Skip to main content

Full text of "Dars e Nizami Darja Sabeaa Maoqoof Alai 7th year"

See other formats


ظ۱ 
1 02 1 
AT HT 11‏ 


٢1 
ETI 


ET TID 
1 7 0 ل9‎ I 


0 TI 
۲ 


١ 0 :‏ آذ افادات 


N 


[0 0 ٦ : iL ا‎ 


ELIE 
آ‎ 


ف و ےی ی ست ایک رنہ اد یکت کي طرف ہے کک ایس ی 
جب تل الان ا یول مد جور ےا ںوتک لن ای جا بندگی ورش ارا کیہ تہ و رگا ۔ 
کات عد یث اور تیپ ونکر وسک عد ح کا ووساسل جن ی رکچ کے ر باج مارک ےر وا 
تا برع تق وان کے وور میں ا ی ںاو بنا تپ مھ ی شک یتحفرف ولف باقاعد وشرو 
ہوئی رشن نے انتا اوریحنت ےم الا کت پت کی ں جج ہہارے دورما م و 
ع ریا نکا بنا رک نو رت کی ول نے ان ا ر ال" 
وور معا ال کیل دوک ےا بی لٹا ن کت یس ہے ایی سے ی 
کپ مت اور وکر موان با باشب احاد یٹ ے۵۹۳۵ اماد بیث کا داقر رو جو د ہے ۔حد بی شکیا یہ 
شاد ا اب ا بابرا تہ سےا ۶ فحرٹی جارس میں رای ساپ ری ہے۔ 

ظا ر جد یڑ ار روز ان “من کو وش ری کی ر ی اا دادرمقبو ھر ے جوابتراء 
لیف سے علاء گیا اورگوام وکوا سب کی کی ھا ہو ں کا مرک بی ہو ہے تیم ےکی نان و 
ا نکی تہ امت اور اراز کے م باو اورم تما م و سے کے پا ع کاب سےا حتذاد ہت مکل 
تھ اا کی احراس کے یش ظفل دا راللوم واو پر چت ب مول تا عدالشد جادیے تا زک پو ریم نے 
اہی سما بکی او زان ورڈ بج اسلو پ اودرو وماق ری فرب ء لف او ری ز بان یں تید ی 
Ea ٢ 20‏ اس شش کو فا ات ار رٹ کے A‏ 
پچ اگ راف اف مر کے اسیا تہ وطلباء کے لئے ا سے نہا بی بل تیر بنا دیا۔ درک عد یث ادر اپ 
وا ںوماد یہ تیوک پل کرای قد موشوں سے مال ما لک نے کے لے یما تاب ۔ 

دارالاشا حم کرای سے چد ید تاشوں کے مطا پیر رکمایتء طا عت کاخ اور جلد یری 
کرای معیارادراسی کے جا پان تا نط ر ہے خا می کیا ۔اش تھا لے :مار ے ےد د چات 


ا ورڈ ر ت ہیا ۓے۔ 


از اژادای " 


پارا الین ن دی - 


اد ڈستہںیں 


۱ ترز يجيد 
ُ ما !ما درم یی یضرف 


E 


رازا یتر کارت مجدمد 


- مج قککای تج دارالا شع ت کرای افرط ہیں 


پا امام یل ا شرف بعثائی دارالاشاعحتکرا تی 
طاعت : ارج ٠۰۷٢۹ ٠‏ کل پاک 


امس : نجاس ۹۵۲ 


ن موا زا شی صاحب 000 
ملاتا ار لاحب ال چام دا رام کرای _ 
مولا نا واشاوصاحب eR‏ 7 


د ٰ و یت ا رآ ازدد زادگ رای 
اواز ا وار لور آرا ر یت امعوم 20 چو روڈ الا e‏ 
ارارواسلا میا ت+۱۹:اتارگ لاوو ---- گج رما ۱۸ ا ردو پا ارلا مور ) 
وشن 437/0 ران ای دا یکر رق ۱ ) کت می را صر شی تکرک مارکیٹ ماردہپاار لا مور 
یدارا عو مور یکر؛ چی۱ ` اہ شید ع ا رکٹ :راچ با ڈاررلوالین شی .. 
کی ہز وت دارمل اباد ۱ ٔ پیل جا برا نک پ اردوپاژارلا+ور ۱ 


ود زی بک امک نھب از پٹاور پچ" ادارواخلامیا تٗاردوہازا ءال 


نن لززز رن 
مع 


٣ - ۷ 7 ۱ 2:‏ ْ ک- 
یرٹ E‏ ا زک کا مشت روہ ھبوعہ اجاراے سروف اش اک 
۱ نا اتی زکاعا ی ہے اوریہ اق لیف کے وقت سے ہج تک توا و عوام یں قول وچو او مم حدریت کے درس ویو سی 
ای پیش داخل درس رچ اتہر انے کے علا نے و کی نت ون میسو شرملیں ملف زہالوں یل تر کی ہیں۔ یلام یوار 
خر الفا“ عبدا لی حر کی رل شرح ”لحات“اورفاری شرع اشح لمات “مولا؟ ورش کان ویک" يق 
"خر ۱ 
اردو زان شی گی شاو کر چو کن و ت 7 وک کو 7 
فیپ ںہو اوران مرف ا ش کر درول ای ٰ 
نا رق شرع مقو “حر شا ب الع رث وبل گا ا اشن شا ما 7 م 
او کی مشہورومتبول تا یف ہے جوایات لیف کے وقت سے اب تک علام طلیاء اور وام وشوا سب تی کی کاو ںکا 
رارک ے۔ کین ای ف ای سے اک سوسمال کک اردوزبا نل یہر یں یراول انراز لیف اپ سوسا ل بعر 
یمانوس اور ناقائل ہوک کی وجہ ے| ی کاب سے استیارہ کرٹ تن شل وی اتا 
ا اود ر00 سے شد ضزورت مس و کی پار یا کو الل کا بندہ اش اور ا شر کزان ور تق باو 
وجودزمانہ کے مطا کل او رما نکر دس ےآوے مر شک ڑگ ف رضت ادر ای گکارتامے ہوگاں _ ٰ 
اس خداک کے دارا لوم لوین ر کے اگ ار زت ر مولانا بی ایق چادے غا زک لو گی نے | کی شرورتٹ ٹکو کو ا کر جمت ان ڑگ ۱ 
۱ اورک سا لکی محنت شا کے بعد ”مظان “وزان ون :اور تر تی بکانااسلوب او نال اس عطاظرایا اور ا کو "مقا تق دح '' کے 
ام سے دلوت ”ان“ سے مقر سو ٹس شاک رایا اج کو ام تون نے بعد دکیا اد اکا تھوں ہاتھ لیا وٹ ال موا فکو ا 
اک ا م عطافرائے۔ ۱ 
۱ کا افا چ کک موا کات اعت ا راب را کیا کہ ےا ے خال روک 
ش ل مرا یا اسیا ٰ 
اب ضرور ت تی "ظا ر دي جد قافو سے انات ات افر بی کالما ای شی 
ا نيت رشا عکیاجائے۔ 
` راک اا شک کاب ٣‏ مار یف بار ۳ انل سیٹ باج م جلدوں ‏ نات وطبانحت کے ۱ مع یر ال شاعت 
کرای سے شاک رہ ہیں 01 یمیا شائعتکاچند e‏ 


ارک بے گے ا e E‏ ) بل اڑل 
رق خصوصاں:- 


0-0 O 
کیش کب دیمع رکد ےڑک ج‎ o 
باقصمعہ نت ج918‎ 
1 ۱ ْ ۱ اب امد ہف ۴ ار او ا ہے‎ 2 


o‏ ا کی اشماعت شل رم ری سے سشار او رکنواؤنآلمالیاے_ 
©‘ سے وس ےن جاور کرش رز دی فی ےا ک ناب وال شی س ہوا ؛×- ۱ ۱ 0 
|0 پر سے کلک چا ی مدیشک شر تاب تکل کی چ کیہ ے اہ رن ضاق ا اتتا 
اماك رہ وکیاے. ۱ [٠‏ 
۱ © ہے شروش تام ادیک شرانک قل رتب لات شا کے 

© ار یکا بک کی ابت ر لکیاکیاے اد کاخ اجام کاچ ۰ ٠‏ 
9 یراک اعت اور جلت تهات مین اور مضبوط بوا جارنی ٹیں- 
ان خصوصما تک دجہ سے بلاقو ف ت ردب لھا جانا ےکی تیاب * ما "اتی تیف بول کے وقت ےآ کک ای شآانہ 

شوکت نے شال می ہوئی ھی یی کی اشاع تآپ کے اتھوں شین چ نٹ تال مارک ال خر مت ریت لوقبو ل فر سے اور 
20 لولو کو ای سے تیادہ سے زیادہ ارہ یا کے اور الد تحال ماحب مرق وصاحب ظا رت اور ای کے ناشن او رکانب وید ْ 

طباعز تآ نے دا لے کاب بد ایم عطافیائے او رآخرت مل صاخب حدبیش نیا رم روگ الف صلی اللہ علیہ 0 
می ہفرائے۔ ائ تارب العالمین۔ ْ 

ا س قر 
رش شل 
ر س دارالاشاع کرای أ 
7,۲۳ رجب ۱۳۰۱ھ ھ ال عا رگا ۸ 


فافز 


.۰ یہ کے 1۳ھ فا إت سے جب ی ماد و اواراللوم واویتر ا کے رک و ریک خوش ن 
تھا اور الس بای اتان کے موتح ر مشلوۃ شریف کے لت موا ےک کے کے سلسلہ ین طاہ رشن ' ' وج نکی سعاوت 
اک مو ہے علا مرح چیا جب ” مظاہ وی “ل زہان و بیان او رت رم رز تی کو دی کر وس کوش کے لماک اکر وس را تک ) 


اق وا ےط سر اض ات تل LOGS‏ یت کان ۱ ْ 


: طل کو یس سے بی ]سانیاں ہو چا کی چ ل مشولات کے جلمہلہ ماس سے دو لت ہیں بلکہ عوا مکادہمطیق گیا ال ارد وت جمہ وشرح 
۱ کے زرنیہ اس مقر نی ”فاو شریف* سے کراب فک رکا ہے جوک ا اریت بوک زع ااصلوق والس کے عاو ومعار فکو ۱ 
ٰ روعالا افص یسر کاٹ اور | روک فلا ر جات ا زرل تا ے_ کک 
ا مقرل جزبہ اور تا کار یک میس نے ۶ زی کی کر اور ارون ۱ 
5 کے سہارے روان نیا ری کرت سال داروم ھی زنر سے نرات کے بعد جب چئ کون ق ودای اوروقت 
میس رآیاتو اس ؛رادہ ےکی کل ا ختیارکرکی۔ 
۱ ورک ئگ کر شی رم تی دی کے اراس کے وج دض قو نل کر اور کید میرک سہارے 
۱ اس تیم اود ا کم کاپ اکر دک یی ںی کا یلا“ چیہ اس وقت حاضرے- ۱ 
۲ نطرت شاو خی العززہ وہلوی لف ارش ر حشرت شاہ ول اللہ رث واو کے واسہ اہر بن کے سنشن حضرت شا مر اکن 
رمو ی کار ج مشلو و "ما تی "کی ل یاو ے. شا اکن ےی رشیرحضرت علا نواب ق قط ب ال ہناد ہو ےے امج کو 
ر اضاثوں اور شرو کے سا کے معا رک ریکل دی ھی اورا ب ا ل کا ان اب ایک ذا تک را یں طرف مدٹاے۔ 

اب ج ”عا ا و پہلا سوال ای کی شاع کا جیا ی ےک ےناب لوچ رف ۱ 
کے صل من کے ماھ بے سات کے مکو صفیات ہیی ہو ی چک رای ب یز شرح حو کے اضافو ی کوج سے خغامت 
نے او زنادہ وت ا ختیا رک ری ا کہ تہ مس کت ب یار اشاعحت وی ہو کے اور تہ ال زور کے 
لانو کیا فا ری حالت اور ون کے مصر وق اوقا ت اس ک ےمشفن اکلہ بی ناب ییک وقت خر دی ہا کے 

اک لیے بسار نمو رور کے لحر ے کل او ر عود مت رطرلقہ اختار رکا کے نک اک اما بو اقات تی جائے۔ چنا چا چہ ردد ینہ 
بحرا یکی اک قط ار اروا سل یات د وٹ * طف ے اچاد دک خر ت ہہ ا ت ے ہیا 


2 الا ری اور۔ کر کان سوزمفرخامت ہوا _ ۱ 


یوی کے لل یس ات بات وکر ری رود تامو ں کک ممن ”متا ہت انے اماو رت کات جم پل قت ںی 

۱ اور ای کے اھ امار یت کیا شی یس ہت زیادہ اختمار کے ما کے کام لیا نتماء ای ری اکٹ احادی ٹکو اخ ر شر کے ی ھور دیاتھا: 
نا ا قر صرف۔ کہ مرج پا حاوردادر سی سلیاہے ہلل ہنشربیات تکوم زر ما کا و ر ن ا خالل ` 
۰ رکاج اور چہاں ضرور تھی انا ادیک تر کار دی ہے جن کے صرف تجم یا پر صاحب مظا ہت سےا کال 
سے ریس ناوچ INE‏ تم ادرعد یی ثگادو سر پ م وی راسا کوسا نے رک اک یاے اور ان ے دل ٹ یئن نم 


اہ دا کر چ کہ اب پاتا مس اب پا ارول نیک دقتقارت طانحعت ۶ ۶ "8008" ۱ 
e‏ 


ظا رک جرد . ۱ ۶)2 أ ۱ ٰ 7ھ لد اقل 


بھی ار ا کی نشربیات وت جم میں 7 کی یر وا کا 6 یں و ہے 
م سے بطو را گترار۔ س ےک مرا مار ری کے تقاضو ںاکول راد رکا ہو اجب مظا رک کے موا بور سے مق سے ۱ 
ما کر وا تح ا با اد ری را نھر رر مھا ے کے ral‏ مرف فراش 


نظرخل ۳ا( رو یس مظاہ تی زی “کی ترحیب وہر کا اناز ہا خا اور ےج فاب 
ایس سمال بے بعر چ ب کے نی تاب قط وا ر تیب واشاع تک کیل ےا ری مل می سے بس قاری د شید اہ ہشن یں ۱ 
کیا جار ہے بی نافارہادائے مفہوم اور اندانربیا نکیا خامیوںکوتابیوں او راطو ں کا اخترا ف کر اضرو ری تا چ چواپ رک اباب 
۱ می اور سو اتل تطوں شل کرت سے موجود ہیں ان شا ا اب نظ می کے زر یم لباق تک مل روش ان 
۱ نامیوں :ورغلطیو ںگووو رگ شمر فی جا کگی۔ ۱ 
ؤات بے ٹا نے ایا ہمت ہے ماب ے ا نار ہمعم ون کو تی مرت رای نواٹ اور وکر سے شس طح لواؤ اور 
ما برک دی *کوشہرت و ولیت ل م رر زی عطاڈیائی ہو کات شک ورک ےکی طاقت یہ ہے بای عم مکہناں سے لئے 
ر یا رتت بے حاب ای سے اس ٹاکارہ وفے ماپ 7 کی 0 مصصفھ سیت 2 
لاموں کے خلامو ںکی مف میں اٹھگ ْ 


یالت چاویر 
2 رر بی ۹ھ عم اہارگ 


رست مظاہ رق جرد (ہلراۆل) 


کوان 


av 
راتتاز‎ | 

مقرم از مولان ارمام استازالیدنیث دارالعلوم لوتر" 
مصنف م اجر یاچ" 

مری ٹک ناوشر شت و ایت 

اوو ری یک خصرسیے رایت . 

صاضب مقا ر اور ا ننکاسلم یز 

تر شام دل ١اش‏ ربو 

خضرت شا عر اوہ 


ا مقرت م ولا زاشاہ مر اکل صاحب مرا کا 


ث٦‏ غا رف کے مو لف ملام طب ال دن خان 


اجب مھرا ادد ابام کن بین حور اوی 


مناحب شوو ا نانعلا ول ال نا رمن بد الل 


تم حعدریٹ 
ام مین اال ار 


ارا 


۳ 
اما مالک 
ا ۱ 
ام ای یٹیل 
ام رما 

ا ارز جا 
durv‏ 

امام امن اچ 

الاد ار 


رر“ 


س 


| ل 


کتاب یمان ١‏ 


نام این کن کک 
سا 
ء۳ بن زک 


اور لم ای 


ااعطلاحات مد یٹ اور انی گریڑے- 
وباج شاچ ر رت 
مشَلوۃ شریفل وت 


اواب اماك 6 مان 
اکان امطاب 


لاان 


۱ امان و اسلام 


اما کےا جا ری مات سر سے 


ری مت یس 


ا مالاجثت 

ساکع وو ہے 
اما نکی شاش ) 
2 کن اور سلھ کا مہو ۶ 

ورجات ګت 

اما نکالزت 


ابا نکالطف . ۲ ۱ ۱ 
املا ی رار چات ے ۹ 7 


E۳ 


ا رن ہدج 


یروس سے 
کفار سے تن فاعم 
.امم نکنے؟ ٰ 


جنع جانے وا ۓےشمال 
ان کال ) 


احا ات الام ا 

عو رآوں کے لآ پکافران ۔ 

انا نک رازیب کس رتا 

مان ےکوی رامت و 

ا اش تال کنل 

|| یرایت 

ووژ ےرا 

ات لمان جلت لفات . 

چات گادارودا ر کباتے . 

ا ولس مم سے س بکزادمٹ جات ہیں 
ارکاع ریت 

ان کیا ؟ 

سب ےا ال لے 

سام کون ے ؟ 

ا مامت و انام عب ہیمیت 

کی جا تک انت ٠‏ 

آوحی رایت 

چت ت اور روز عکوواج پک ر ےو الیش ڑے 
عق ید تا رچ والوں کے سے تک ہثارت 
کل توحی د تجا ت کازز ہر 


رادناش 5 وچک ین گا 


امان اور اعلام پھر وا ے “ی یں ` 
ا دراو فا کی علامتو کا 7 


سب سے ٹ راکنا ۱ 


الیکا ناورمو معان 


اک کرو وای ا ار ے۔ په 
کیپ مت نف اور اش ۳ 


| دو مرن کنا جن کےا ر کاب کے وقت اھان ہل ای 
ماک لیس 


وا ق کان 


مال نے وای چچارہاتں 


| اک شل 


وہ جن ا زایا نک یں 


ضرت مھا کور او ںکیومیت 
ابکفرپ یاایان؟ 


۲ وسوس کا بان 


وسور" 


"و سوسرں کان 


و وسے۔ اور ا کھتنا ایا نکی علاہت ے: 
شیا سس دا لع وٹ 


۱ ںہ 
لاوت کے وت بچ کار ونا شیا پیک کا مہ ہوڑاے | 
میاں یوی کے ررمیالع شیطا ن کاپد ر کم . 


”ظا ری جدبد 


شار 


ا کے ر کاک ) 
ا سپٹ اندر کی کی تریک پہ الل کا کر اور شیطائی وہہ کے 
7 وقت اشک بنا پاد 
سے پدا ںو شیطانودھکاررد اور اش قال کیا 
۱ اہو ۱ 
شال دسوستوں سے چوکنارہو 
ما کے وران شیطا نکی اص اتد انگ ُ 
وگ اور وسوسے 77 توا ڑگر کے۱ ما زجارک رو 
نز ر امان لان ےکا باتع 8 ہل یناز کاپان 
بابک تایان ` ...مہ فضال نمازکا بین 
کاب وسنت پر اخارکایان | ا ا يان 
کناب العلم یمور 
کی یات 29017 مساجداورمقاماتنمازکا مان 
) کتاب الطحارة ترو ڑا ےکا بیان 
ی۲ ان 0 مول 
وضوکے واج بے وال چو کا مان 2۵۷ ہھه+ھ' ٰ 
: خرو کے سے ےگ زرنے اھ 
خاش ےآرا پکا ان : ۱" ور کے راو کا کوک رتچ 
واک کر ےا اك ا نماز ی ےآئے سے لزراہت ڑالاے ` 
۱ و ضری سنو ںک یا ) زوا راز کے ور مان ےکر بے وان کور وکا 7 
ھا ےکا بمان ای قافرا ات 
تی اام کاپان _ م | زی ےآ ےگ زا فیازکو ای کر 
ا ل ورت :گید ھے اور گی ےکی شی سکیا وجہ ۱ 
6 بات نماز ی کے گے کور ت کے آجانے سے ماز اش ہوٹی 


ٹیاستون ےپآ ک لز کاپان ٠‏ | زک گے سےگمد ھھ وغ ر کڈ م نزک ل س | 


وسر نے 
رکو قر بکھڑا رک رن جا جۓ 
ترا کے ماس کر کنا جا ۓ 


۰ n 
e : 


اس 
IC‏ و 
اھ باند ےک ریہ 

۱ تب لا رکالنالی ام 

از کے بح دوعا گنی چا سے 


نازی ا گر فار گل dtr‏ ا ا تہاوا ہیر کے 


ہیں رح 


ول 
ماز ی کے کے ے ددتا مھ 0ۃ[ 
زی کے 7ھ ےی دور دنا چ 


ف رک اع - 
ما کے کا رق 
رکوہ وو وش یی رو یں یو رایپ چیڑل؟_ 
آنحضر تک یما زکاعط ربق 
تور ویش ٹن کان رلقہ اور اس یل ات کا اتطلاف 
ایا کے سیک یل 
تہ خیطانااحطلب ٠‏ 
2 ری کے وتم عو ںک کہا ں کک اما 
رت ر ۱ 


سس ری , 


دی رنگرےو 
جلےے اترا مت شج ےا ا؟ : 

گب یس کے بح بات کہان او شی رگن ہت 
انل نازر نک ے؟ ٠‏ 

خی تم الع 

ا خضرت ناز رچ 


وک رد ےک ارد واھ | arr‏ 


| ین صرف کی ری ےے رقت ے 


ن 


ا ےم . 

گی تم یھ ک ےہ دادعا ۱ 

| خضت راز ووک خام وی اختیا رک ر کے جے 
| 

| ازس را کا بان 

ی رکتوں ش قرات رس ے؟ 

از یل سور الا اک شت کایاں 

ما زی سور وا او معا ر ملل 


اش وروق کے ا رو 

شیر ی لوسو رڈنا زی پا اش ؟ ` 
اام ےی کی ل 

شاو اہی “ی چا جا آسد؟ 


rar | 


-٦‏ اپنے کچ وی 7 ر ارپ 


۰ م ت رر مان اک 


ا اح ٹہ نے سے نمازنا ادا ہوٹی ے 


مار در . 


نے ن 
نکی نیا رکا ریق 
ا زی فر تکاطرلقہ 
|| کی رک تکوطوی کے کات 

اٹ رآحفرت ک قم مقار 

|| آنخرکی رتو یس ترات کسیر 

ری یارس قر آرت مخ رپ ی نماز ی قرات 


- ہا کرام کی جانب سے ماز ول ٹیل ترا تک رل 
فو رٹ نے دا کول نا ھت دا کیا ار 


ہے ہا 30-1 

) 7 زاو ں کی رما تیچ 
ما زحعخا رک قرات 

ناز یقرت 

جعہ کے روما ری قرات ) 

فبا ز فی سن تک قرات 

ابق را ا ڑکا کک اب ھن 

ین باوازبل رای جا سے یا ہس ؟ 

کرک 


آ ب خر ب میس طول رات کر نے کے 


سرشول یلت 
تح کے روز نما مقر بکی قرات 

ما کے ہے فا کہ عا 

ام کیا اعت ضر دی ے ۱ 
ورم iê‏ تح یقرت کم کے سآ 
2 یس ترات ہتادرد ہوو گیا ے؟ 
انام الا آب ای شال 


ارک نآ یو لک ات کے بو کا ا ہناچا ؟ 


روآوں کو می ایک سور سنا 


> 


رت مان ماز رل سورة اوس ف کت ے رع 


روم کایان 


۱ روو چو ویک طرق سے کر نایا ۱ 


ا رمک ایت اور 


آحضر تکاقوم وچلے ` 

رود 00م 
و مکی ریا 

ریا رکا کم اور ائمہمحاسکک 
رور چودکی چات ك 


اضیل تک بیان 


ا اء کر ۱ 
ہرہش انی تک گم 
مہ رہ شنم تھوں اذ ر نیون اورک ےکاطط ریہ 
روش ںآنحضری نٹ کی ریا 

دہ لارو کار سے تیب ہو نے کا رکیرے | 
ر تلاوت کے قت شیا نک یآ و واکاہ 
امیس ات ری ې 
کد وکر اریہ 

و ونوا پروی کے دران آحضر کی ریا 
لرک ہل ری ر ہر ےک اتی 
رذآوں رو کے دران اتھاء ٹور چ 


: رونوا تھی کر کے 0 


یدرد یس دوگوں ت کہا کے جائیں؟ 
کیان 


ا التقیات یس ہاکھوں و کن افر 


نی کے نزک شیا ری انگ ی شیا ےکر ٴ 
نشار ک وقت ہار تک کیک رک رخا ہے 
اشارہ مرف ایک انی سے کر اچ نے 


لد اڑل 


تع ہیس پاتھوں یک الاک رد ساچ جج 
تع رو کم تدا رق" 6 


r + ۱ 1‏ ہی ۴ ۱ 
٣‏ یا تآس د ہآوان سے پ ات 
زس ھآواز سے ھا شت ے 


یات یل رر وو ڑھتا اٹ ے باذل؟ 


ا یات یس دروو کر ) 
آل رون 
ورو وغل لت : 
امت ملم فر تاپ ی جیا ے ہیں 
آپ ل 022 وابد 
گرو ںآ وتر مایا چا کے LL‏ 
ا ررورہ ےد ای 
رزو ریسا مك قباست ۱ 
۰إ برورع ىسا 7 یی 
ورود ک ےہا چاسے وال اتا ا 
نا : ہت 
) زور وت ار کے 
| ورور آحضرت پال ین 
ورور فلت 
ES‏ 
ہد شل رما نے کا مان 
ہر حشرت وي 
ت کو ا 
7 ای ۱ 


شہاد تک ایشیا ن کےے اع نیف ے ٠‏ 


اشرت درو کیک فقیل تک مان ۰ ` 


لوق و ملام کے الزفاط کا ستل قر انیا سر ہار سے پا 


سے زین سے اہ انی چا ے؟ 
شد دورو رع ی دعا 7 

ما پھر ےکاہیات 
ما کور وا مت 
مااع ر کی رما 


نزک طف تکر کے 


آ پٹ مان پھر ٹیا میں طرف پچ رک ری ے 
ل بر لے بر چاہے 
آ کی تشہد کے کی دعا ۰ت 
ا کالم ار ےکا ریہ 

ا سے دقت خوا بکانیت 


از کے اشام ا اکنا 
ریس کے بح داپ 0 نےکیامقدار 
ا ٹن فا کے بد کر ۱ 

ٰٴ ما کے پچ کن یں سے ادان جا نے 
تے انا یڈ لت . 

1 رت " ے 
بویت روا کاوقت . و ۱ 
راز کے بعد محوذات پر ھت ہام ۱ 
فو اقاب تک رتفد 
دو نازول ےد رارق اراچ ` 
مارےسر یل 8 
یٹ نکر یی فلٰت٠‏ 


مظاہ رس جرد e,‏ ظا | لر :ای 


وان تواك .. | 

ماز س چا راو ر ناچا چزو کاپان ` رای کن اہول ے اوھ ارم وگ کے 5 
ماش ینک کے جواب لم مک ا ایض غاز چ ازس شیطا اثرات :۰ rr)‏ 

کان نکی ریف رہونے ے از نیس مول کی 
را فگ سک وت ں؟ ۱ نما زی کن ریاں د ٹا ےم جج ۴۴+ 

. ا ظ ریپ 1 :_ حر ہک لہ صا فک ر نے کے لئے یھو تک نہ ار جات 1۴۵ 
ق 7- ملا ماج اب وار ١ے‏ | کوک پان رکھنادو زجبو لا کے آرا نکی صو رت ۵ .: 

"ا ری تھے اشارہ سے سلام کاجواب دا مق ماز ٹس | مہ | اش اتپ کوک مار ےے کسی - آوم 
| بے 4 ۱ : ۱ تحضر ت نا باز مات مش درواز کو تھے ۴۹ 


از وض ولو چان کافتلہ j.‏ 


اماز نکوبرا کرت ستل 
| آحضرت کا ایل وات A‏ 


ری ف ررر چ مج 


تم مرف . ۱ چ رہ چک ہک وک ری سے جیا کے کے لے رت چا کر ۰۴۸| 
زمازیش خحھرکیوں متو ے؟ | ماز حفر کے ساب شیا نک آ ک کیپ الہ ٠٣|‏ 
تیا یں اع را وع اکسا ے ؟ مہا زک اشمارہ سے سلا مکاجواب رج ےکا تل ے. fq‏ 
ازل راکوت تاہما نک طرف د شال پچ ' ره وکا بیان ۱ : - 
سی دس سید ا " کں رپس یسا 14٨‏ 
|| اب !شال اور اکا جواپ ۱ یر سو ل رک کنا جا پنیا اپ کے ار ++٭ 
ا زی جما ےرت مار لاچ ` زرددیارها رہ س ہو سے کے تا یاعد؟ ۲ ۵۵ 2 
۱ ضرت کان کے سا بای راق زی کی کرک وا ہو جان ےکی سورت ی کیاکی جائے عم | ` 
از کی خائن ماخر کیا ا کاچ اضر سے یاز ی جکہوں پر ہہ ا تھا ؟ zl.‏ 
) ٌ یسیون تا ا : ۳۵" رٹ ہو کے وکت کے ہار ہیی ا کے لک ۸ 
تس زا نمیازی ک اتمارے سے ملا مکا تو اب و ےکا لہ ۱ 0080+" -- ا 
7 مت ا .ا کے کیت ا ۰ 
رازم کے کے رور وکرم | سور کا رہ ۳ ۱ j ٤...‏ 
مال شال اڑے سور ؟ ا اق اور سور ین کے چرے ۱ اہی ا 
bl‏ | کرو وٹ داہبی‌ے ٦. ٦‏ 
e e ۳ ۱‏ | ضر تک سورۃ جم یں دہ نک رنا کہ 
ماش ازم ارم دیکے ےراب مکی ہو اتی ہے 6 ا .ا ۱ ۱ تْ 
مازخ نظ رر ہل کہ کی جانے ران ش کل کے ہے ہیں؟ ٰ ٦‏ 


| ازیش وم ا دع ری پور لےیاں چول یراو .۴| 


مظاہ ری جو 


یاز چ د سر سے 
ناز شل آ ئر سور یش چ رہ اآئی تآ چان کال 
وو روا اوج سے درخ کی فلت 


مرف چ رہ سے وقت کیرش چاسے 

1 حضر ت کا نل سورتوں لہا یدن ہگ رن 
بی کی ریت ے تار گا 

کر لاوت“ Eî‏ 

ور ووا کرم نے 

وروک کرہ 


لوو خروب کے وق تہ یار ا پیا CS‏ 


وین اوقا ت ن یل نمازڑھناممنوحخ سے 
ٹر رع ےرم رکون نمازدہ اپاج 

از کے اقاس ۔ ۱ 
خضرت ا قمر ےپور رو کت ) 
٣‏ کی سو کی تکالہ 

ٹا ہکم ہکاطاف موق ت کی اھا سا ے 

خائ کب کل چ روت فیا ع یسیل 

ھر کے روز نف التہارکے وقت راز لے کسام 
اوقا کرو .×× 

راز غص کے بح رکو راز صٹا پاس 

ع کے بور رو رکشت نراز شر ج نکی اعت 
قاعٹ لففیلتکایان - 

اعت ق واجب ے یاسنضت؟ 

اعت کے ایام وای e‏ 
Ta OT‏ 


کر اوت قاری آور ہار ولرل راچپ ہوڑتاے_ 


) نع اوقات یس راز عتا میں ہیاندیان 


شیطان کےرہ و 


اسنا اھ 7 r‏ وکر 
خت ادا کوچ ے مامت راما 


٤‏ زان ول ے اڈ ان کا جاب تہ وپنے وا ےکی از قبول' 


رک بماعحت کے زر 
ماع تک از کاپ ۱ 


واج . 
مق تھے ایاج کاچ 
نماز یہو چات دو سرک نبا ایاج کی جا 
کور ٹکو یں چا ےک جات بے 
ورس خوشبو لک مس رٹیل نہ چا 

مو رتو ںلو ریس تی نما ہنا رس ۱ 
کور تک وکس چ نما شعت باشل ے؟ ۱ ١‏ 1۸1 
ٹواکر چ می جائے دا رکفد تول م | 1 
ا خر شراک ارک دالی ےی 
7 اور کاک نمارو ںیہ ضیلت 

جماعت ے راز ھن دلوں ۳پ ییا فا بش ہا 
یذ ہماع تی شیک نہ ہونے وا ےک اہول ہیس ۸ 
پٻ - ۱ 
ماع تکھڑیی ہوچائے اور ضف | 
سے ارح ہونا چاسے 

ین چڑوں کی مات 

کیا ےکیادج سے نماز ینان انت 


وھ ا 


پا 
7 
جراعت پچھوڑز وال لاہ گار ہوسا سے 7 8۷ 
زا ہڑجا نے کے بح رل ازز لے مسر ے رکم | ۶ہ 


7 ۱ ١ 
لال‎ ) ۱ N, ا‎ 


کوان | SE‏ 
ا یں ہوٹی 5 1 وار زمیک مات رلررلوں ر jÎ ger TT‏ 
lÎ‏ سک بھی جات ۰ نآ ومیو ںک اعت ۱ ۳ے 
گی نمازجراعت سے جع نارا تک رعحیار تکمرنے سے پتر فی زی مر دوعورت کم رع کے ہوں؟ ۵ 
ا ْ ل ت ںآ ر ہو ں جماعحت رتو ان یں سے دیپ امام من ہا جھے إ[. 
روآر ہو ںی اعت وال ے وا کے لے ہابت ر جل جھڑرا ہوناکھردورے +2 
۱ عو رتو کے کر جا کالہ ٠‏ کرام تچ اور حقتری ندب ہو ں وکا ہے “این 
رات کے کش مال ۱ ۱ تیم سے و تھا وی کہ سنا ۰ ۱ 
صقوں کے 7 اکر ے زین ۰ احا ف می سآ پک امامت ۱ 4ط 
۱ می رار رک تم مف یدرگ طرق 2 ) 
۱ ہے ہش انام ت کا ان تک ۱ ۰ے 
پا ۱ آباص ت کا لان ے؟ 2 ۱ ٣‏ ااے 
صف باب رتاش زل کیلش ےے ایا امت جا 7ے 2F.‏ 
مف رابرد رک ے قرب ش انف پیر ارجا لی لد 7 ول یس ہو ۳اخ 
ع فا رب مین تحخصو کی مرا زول یں ہو ۱ ° ۱ے 
e‏ ساپ رش شور وی ین حا امت ےکر تاس تک علا ست ے ) شاك ا 
کر ا ا کات جارج ۱ < اقاے 
۱ مرداورکور گت مکی چم نبا کی ابام کا تہ ) ٦ے‏ 
صضوں یل خلا راچا ہے آنزاوٴگرد لا مکی امت .- ٣‏ آےے 
نی لور یکرو وو لوک ج نکی تما زتہو لی یی ہوٹی انے 
لیت ام رلازم چو کیان ۸ے 
۱ فی دائیں مرف کا ہوا لے . فا زک و چھا رکا ناچا سے ) ) لے 
آپ صفوں وبا رر نے کے ود مز مرو اکر تے ے غاز مان شا نے واا ای یی یاز خو ع + 
۱ نڈھھےدانےے یں و ڑ نے اوریجار مرکو ںکی دحا بت امام کے لے ضرو کی ے ١ے‏ . 
بس ععذض ۶۳۷+ ا OT‏ 
۱ بی مف یش وت کش کرنے پردمید 2 سے يان 
مہ کے تاکز ہو نے وا ل ےکی شاموق ہپ افش ؟ س2 ا امت LF e‏ 
ھت زی :ام ے مکو لور دکری ےت نے 


۱ حر ک کے 
امام اورم زی کھڑے ہو ےک ب کیان اا ا اسا مو e‏ 


مارک بر 


ٰ 7 یت 
کہا غاز کے دو ران اماصت می لق جاکڑے 
و رن ْ 


را و 7 
روح یں شرت ہو جا دا ےکی ES‏ 


ٌ کے بارت 


صورت یب یتو اب لھا نے ٣‏ 

| اعت فضت ` | 

آپب کش وات اش حضرت الو گت تہ 
پل نیرت ٰ 
روم EDE‏ ان ٣‏ 

ا حشرت موا کے وومر راز بج نکی ررس 
اعت کے ساتھ روار هنازخ کی تیت ) 

دوبارہ نمائرٹڑھناباح ث تو اب ۓ ۱ 

9 ور مم 

ایک نیا وو رونہ شر ےکا .2 ۱ 

روپ رو فمازنہ م ھی ا شت اماریٹ ے ١‏ 
وہاوثاہت ٠‏ بن یسل ار ویار و یاز ھا نوم ے 


نو ںکی فلت سک مان 
ستو ںکی تار اور ا کے شر نکی فقیلت ٠‏ 
e‏ 

ھر کے وول کی یراو 
که 


سس ہد | 


پا رو کک یی راونا کے ساتھ مات از نف : 


ہہ اس ُ 


ب کے ہت چا رد تی ھن یں 7۲ 
یر پل چ رھ لفیلت 2-۸ 
ازل الزوا لک فلت : r‏ 
کی سس Arr‏ 
مر میں دورکعت یں یاچارر تی؟ ls‏ 
تو ادا اٹک انل ۱ LF‏ 
لال یکا ترارش راھ چ Arr‏ 
عتا ی میں ٰ ۳ے 
ارشاو ران ”ارار ا وم" اور" اد اھ مرک ھ٣‏ 
۳ تی مرا د ٠‏ 
) بر سے کے پار رکخت راز ٹہ ح کا اواب ۲ ٦ے‏ 
خر کے بح ددورآحت نما ْ ۱ ٦‏ 
روب :اقاب لر ادرا شرپ سے قل نر زکا تل //ھ 
نوا لکھروں ارا گے جا گن ۸ 
مغر بک ہیں ایس طو لآراے ` ۹ے 
) خرب کے پر شل راز ھی فقیلت 24 
ت0 نکیا ؟ * ا 
ل وخ کے درم و قنک/ چپ ۵۰ے 
اھر شس سنوںی ای تیر ۰ 
راتک نما رکا ان ) 7 
آس پا ات دک ر ان کیا کم ار ا ٣‏ ٹے 
سے ّ ۱ 
7 رس از اور سٹون روا ات چت 2 ا 
سے ۳ ْ 
آپ فک مو ےنا و کر روصع ےھ ڈدے 


| فرش خرب سے لے دورکحت ٹر سک ےکا 


| اا ر 
آپ ای می ارال ذورکحت کے 


مظاہ رک جج 


وا 

اأ آفحضر تک یما زکازکر 

تین رش یں ۔ 

آحضرت کی نما رہہ رییغت 

آرت گر قل چ کر ع ے 

ناز چ آپ و کون سو رات ۓ؟ 

ران م ع رتب 
| ا بی رکعت می سور ولا مل 
| آ پ کنا زپ ری غیت ٰ 

| ار تید شزیر قیا مکی فلت . 

نمیا کات ر ر 


ا 

آپ ہہ لے رج ` 

7 میں شش گرواا سی 

ااماہت 

ag وپ‎ 7٤8 آپ‎ 

آپ را تک ماز یش جو ہے ع جے اس کا 

ا ۱ ۱ ۱ 

مازچچھ یسک کی دنا 

یر ے مرا حور تاور ا کی فقیات 

ہا کے کے وق تآ کرت 

0 زر اشر یلت 

از تچ سے یپ کی رر ۱ 

رات کے یا رر عبت رلا ےک بات 

ٍ۰ ات بارت خراووا سے رہ کے کے لے شیا یک 

ارال . : 

| آ پک عکنرت عباوات اوا سے کر کے لئے موی ی 
عحبارت کے ہا ویش حر ی کامقو لہ 


کوان 
رات ت کارت خد اون رک کے لے د ات وت ےکی یرای 
عورتوں کے لے نماز ی ہکازکر ٠‏ 
گورآوں کے لے ویر ۱ 
رٹ غرا وئ ری کے نزول و تیو یٹ وعاکاوشت 
رات شی تُوکی تکی ایک اع تکآکی ہے 
رت واوو ی فا اور لن کے روز سے 
رات شی بارت کے سکس می ںآ کی مول 
از 1 گی رو یلت 


| از ہے نے والوں ی خو کی 


آریش 18119 


ص 


لہ اذل 


رھ 


. گ گا‎ ٣ 


کک 


RST‏ لے کے 


وري 


٣ 27‏ 
| اتال صا گے والوں کے لے بشثارت - 


فیا ڑ ہیر کے م مو کو ر کک ر ےکی راتحت ) 
رابت س حضرت رای باد ت اور اعت تبولیت 
ما تد ذضیات 

تی ہک ازال ہے رو ے 

ئل غاد کے م رجش کی فقیلت ‏ 


| امن کے بل زع کون لوک یں ؟ 
راتک عپارت کے سامیلہ می خضرت رکا ھول ' 


ھال یں میانہ روک اختا رک ےک ان 
داوم تگ لی فلت 

با سے پاہ رع رازت ت ہک ری حا ہے 

گے 

ےک حا یں از لی ا ہے ۱ 


وین اسان چپ اس اسے لیے کٹ اد ریت الکن 
او ۱ 


کک ا کے 


ار برع 


E ETT‏ س مھ یاچاے 


أ نمزو ریک حالت ٹل کر اور لی کر راز کی ٠‏ 


لیر پئ ےکر قل راز نے واک ورا لوا بے 
ارمز رل ٹک ر غل فاز کی ما ری 


ید آنے تک باوضو زکر ادلد میں خول رست دا نکی ۸۹ 


یلت 


دو خوش ھی ٹن سے الہ تا ہت خوش ا چ 
ازل راحچ و ون ۱ 


ازو رکا مان 

| ماز وت داجب ےیائتت؟ 

خمازو تک اتک رکحت ان ریس ۱ 

) a ور‎ 

یاز وتر کی رکعتو ں ست 

کی فص رر کت شکار 
آحضرت' کیم ا چررنمازۂ 

وتر کے بعر وو رست قر حمسا 
ورات 7 ریا ز مون عا ے 
وکات 


ریت 
آحضرت' روح رات یس ی ھت سے او آنر 
۱ راوت یی کی ۴ ۱ 
ار ما تی وو گی رکعتو ںاج راو 
اتر ور واچ ے 
إا وتر فقیلت 
لقم ‏ 
خضرت وتر ںو کو نکی سو ریش عے 2 
وتر میس گی جا نے دای دعا 8 
رعاء وت کے مت ٹیش اتم۔ کے بیہاں ملف فیہ چیا _ 


کوان 
ازو کے سح کے بعرک اس 
تقل طور کی خوائص وجائے قوی کو عقر ہکر لک ککامنزلہ 
حضرت مواو یکا ایک رکحت وتر زیا e ٣‏ 


ت وع اير ٠‏ 


ھماروترواجب ےج سنت؟. 

مان و تک قرات 

صرت اہن ر داتع 

7 یٹ ھک راز ٹن کا رت 

وت کے بو ری ورک ۱ 
ےی ری فلت 
سے سیت 


سو 7 ای مات 

کی ہج ا کوت فر وش نراروں میس ر واا 
رعاء شوت ٹم کاوقت 

راء و نکی ہار تکاواآے 


: راء تقو تکس وقت ی ہے 


آخرکی فمف رمضسان مل ادر رک کے بد وھائے وت 
عاستا 


| رمان س تمم ا 


یاز راو 


اجات فیا زر اول شت ہے ٣‏ 

رما نک رالوں ںکباورت گر 71 تضبات 

سٹو نل نر ر یں عل قضبلت اور ای کے ارات 
رمضان ےآ ری شروک راتوں می سآ تحضر تک عبارت . 


ْ باو عبان کار رو ر2 بک ففیلت 


لن زکھریں بھی تبات 
دروکر ما یل ےہا رش 


غا ری دږ 


حشرت کم کا غاز راو کے لج اعت کت رک نا 


مر ۶٦٠‏ رکوک اح داو 
مل نا زج سا رالا جا اکر سے 
تما را و ا وشت 


پروی شا نی شب شلک آرم یداش سو گی وی 


اٹی ے 


ا 


گھ۰ل__ ت _ خجي 


AF + 
AF + 
۸۲1 


AFF 


شب برأت می کی لوز اور شک پروردگا ر کر ست سے اا 


رم دماح 


فو یر ایوا ا 
یی بھی ل کے وقت ج افا کر تج بکئیں ہے 
7اک کرات نابر کچ 


ماز یک ان 


| ار و 


نماز ھاش یک ائ ہیں 


f‏ 7 ی سآ پک ی نما زا رکستوں کل نی ار 


مب ریات 

کار پات ۰6 ما وقت 
فباز ھاش ت کب رت 

آأ ماز شرق بات 

ترت عاش اوراز 


از بارآ پ وغول ۔ 


20 بات 
اوضر شبات 
اکار گی نمازوریا 
نر ارچ - 
ممصت کے وت نماز م ْ 


۸۲۷ 
AF 


AF 


۸٦ 


AF" 


۸۲ 4 


۸۳,۸ 


AFAÎ 


AFA 
AF 
ر۳٣‎ + 
۱ھ‎ 


ا۸۳ 
AFT‏ 
Arf‏ 
Ar‏ 


۳ 


A 1 


| وضو سن 
از اجىت . 

از کا 
ت زر ارہ 
از قلت ٠‏ 


تیا مت کے روز سب سے پیا 07 


را زسف رکا اك 


یی شبان کے روز اور شب اتک ارت ۸۳۲ مات قر 


برت نکر 
فص کے یح اتی 
آ پک نما زتصر 


آبت عر لوس الات 


رت اص ۱ 


ممافظر جات سفرم نا Er 75 III‏ 


موی 
وار بنرا کاس 
ضرت مان ای س تمر یہک رن 


تضر رخست ے زیارہ غ یٹ ے ' 


ا ود 


تعر رآ وسنت مات سے 
ا 
مغر قل نار تایان 
کیان ٠‏ 
ازج دک شيت 

ہے کے رن اعت ولیت 


مرل یلت اورمماعت ولیت 
ناتلم . 


جو ال 


۸ ۴٣ ے‎ 


اسر 


AFA 
۸۴ 
۸۳ 
AFF 
۸۳۴۶ 
AFF 
AFF 
۸۳ 
۸۳ 
۸۲۴۵ 
AF 
۸۲ 
دو‎ 
ا۸۵‎ 


AF 


ApğFÎ 


AF 


۸0۳ 
. ۵ 
. ۵۵ 
۸۵۷ 
۸9 
۸۹۰ 
TF 


TI” 


ااا ٠‏ لاقل 


وال ران _ ۱ ای 


میک فلت TERT‏ 
ENE‏ اگ ھن کی صورت ل جک پر ل ئی چا سے A48‏ 


| کو ا کی ےن شار 
اواب تع کرعاہت E E E‏ 


بجع کر نآب برت سے درود تھے 
جح ہکومرنے وا لے مین کے لے ہثارت 


جع ملرانوں کے لے کدکارانے . تعلبہ کے وقت بات چیہ کر ہے والوں کے لے وعیر AA!‏ 

AAI شرل اراتا 4 ن رات اور چم کار ن کان ے نطب کے وق ت؟ حضرت شام اور ا قاد‎ ١ 

۱ بعہ کے واجب ہو کا بان کاو ں ہے جج جع عیے : 41ھ 
مازنقعہ بک کر کاو عر ۱ جع کے دنس کر نے اور وشوا ےکی امیت ۸۳ 
چم یک اڑا سن وا ےم غاز تھ واج بے ثطے اور id‏ ہا ) ۸۸۳ 
وولو ن نما بمعہ داچ ب لے ازع کوت . RAF‏ 


تیا چو کے لیے اعت ری ے آحضرت ا ا جک ۸۲۲ھ 
کور ولوگوں پ جع ہکیوں واج ب کیل آحضرت" روک ھت تھ اوزدوفوں بول کے د رمیا AAT‏ 
ہا رک ی کے کے وعید کے 


رتا مخ خلی يران کی ولاشت ے 
خط ار ار را ےرات آحضرت لقت ` 


مازبتحہ جو نے وۂلا یھ ای کا ے 


اک کل کر اور دہ کے لے سو سے ۹ 
| لی آنحضرت" رآ ن شی مار ہے ے ۸۸ 
جا ےکا ہمان ) امہ ایر خط ونا AA"‏ 
جم کی نماز آراب 3 خی کے وکت تو سیر سے کالہ ی۸۸ 
ہعیش اول وق تآنے وا ےکی فلت “0 نس لے اام کے ا ایک رامت پال اک نے ورک نماز AAA‏ 
خط کے وقت ارا حرو ف او ین امک بھی مور سے 1 7 ۱ 

شب کے وقت نام وی فیا رک رن ےکامتلہ آ ب کے خط شع کاطرلقہ AAA‏ 
خط کے وقت کےآراب | خا کے وقت نرازتی تل بک طرف مج کر یں A۸4‏ 
مسجم کس کو ان کیہ سے مہ اچ ہے اضر کے ہوک ر خط فرشا ریا ے ے _ ۸۹۰ 
ساپ طبر اؤ رشع کےارتات A»‏ 
با یړل جانا خط کے وقت اتھو ںکوبلند دک رنج اچ A‏ 
کے رپ ساسلا ٴا اشرت Ls‏ انت ۸9 
میں | شاا ٠‏ 

ا ہے 7 ر خلب ۳ | ج یم ر دہ لی ےکی سورت اک نا رھ یمن ۸۴۳ 


”ظا رتا رر 


ما زخو کا سان 
ہش رج 
مامت 
227 7 رچ 
نس 
مازخو ف کا اک او رط 
رین از e‏ آنحضریے سیسات )مھ تہ 
پر دی نکی از 
ر کاخ مماز کے بعد راچا 
| کید نک نماز کے کے اذان د کی ر شرو امیس سے 
فبا زعی ہیں سے لے ابع رم نفل ناز یکا سک 
یرال ور کو ں کے جا ن امن 
وٹ یا ن ےکا لہ ْ 
مر یت ے ایل سا ےکا فلط اسر لال 
سعا ی رمت وگ راہتٹ 
آ ضر می رگا۱ چا سے کے ال رھ 
آحضرت' عیرگاہ ہاے وات انگ راستہ سے جاتے اور 
دو رے راس سے وا پت جھے 
ربا کاوت 
تال واجب سے یاطت؟ 
آحضرت عیدگاہ س ق ربا کیک رت ھ 
سلیائوں کے لے کو 0 کے وو ۱ 
ع یاز سے کے اور قر یر میس نماز کے بحر ما نا 
چچ 
کیرات رن 
ابام خلے ر سے وقت حخصا ویر ہکا مہا را لے ے 
یراہ چا کا 7 
۱ رگادجہ سے کید ما ش تی رش پیج اک سے 
خر کہہے او رھ رک اھچا چ 


پ۸۸ 


| تایان 


کے 
ي 
فی ران می خلب ناز کے ھر ساچ بے 


ید نکی مائ کرب 


ترب کیان 

رپا یا اور نے جھ 22 اک امام 
قربا کے رکا صفات 

کس عم کے انو ری قر با کرٹی چا ہے 
7 09 
خی گاء مین قران اف لے 


ا رال ےک 


ت ریا کے وانے کے ےک ہیں 


ا شو زیا کے یک اکال ی یلت 
ا وق تکادعا 
ا سی تکی شرف ےر بای ہاج 


تیب رار چاو رک تر بای ت ہک رنا جا 


ئ کے ردک کے افو رک قر ای ائ یں 
اف اورک قران ترپ 
بذاک قر الم 
| ہایس رک 


لیے 

مشرو زی ان کی عیا تو ںکی فضیلت 
دی ناز سے پیل قی رر ست 9-1 
یا ریا 

اشر رش قریال کے ے 

ترا حضرت اہر علیہ السلا مکی سخت ہے 


2 7 شارت زوال رآ ےا او مار مرو و سرے وم ! 91۵ 


لاقل . 


۱ ملا دک جو بد 


ادر حر وک ہمان کر 
و سے کت ہیں ؟ 
تک رست قر اجب ہیں ۱ 
برضن٤یان‏ 7 ...ا 
ور اگ من کے وقت 1آ حضرت مز 
ناز وزیی قرات ۱ 
سو گج نک ای ٗیب 
۲ نع کے وق ت] آحضرت شيت 
| نما رکو فش تحضر رک یداہ 
سور گنن کے وق تآ کر کا ط رچ 
ورگ رن می خلا مآ زا کر اچاسۓے 
ازکر ف٣‏ قرات ہآواز ہر وآ عآرازے؟_ 
کرشم را وتر 4 رور کے وقت ا 
ٹا زوف کے رور وراو رگرت ٠‏ 
جرک راان 
خی کے رقت خف میب کار a‏ 
یمام با کو دک کر کک رہ پچ 
امت ک ےکم سا نحضر تک شفقت 


سا سس تا کا مان 

تحضر کی نما اهام 

یاز مل سام پار ےه یس اسن 

7 کے وت اتھوںی تی 

7 سی کے وقت ] آحضر تی ریا 

ار کے وقت آ حضر تک ال ۲ 

| اء مس چاو یر ےکاطریقہ 

اتا کے رقت آنحطرت؟ ر و خو راو رت اتا 


) کوان 
یکی رعا ) 
وسیل سے بارش کے .لئے ریا 

ستماء کے خا شی ن1ی کک علیہ السلا مکاو اقم 
مواؤو یکا ان 
07+) 

بردت واک ووک رک رک پک یکیفیت 


ٰ | رووا کے وق تحضر تل وا 


یب کے پان نے 
کت ٹیا کیاے ؟ ۱ 
پواکور! 2 ل لج 


تج وو اکے وق تآ پک رما 


| ہے وتک رعا 


ار کے وقت گیادتا 


qı” 1 


Ar 4 


43+ 


تر 
ار 


حضرت مولا رس م صاح ب تاگی اتا میٹ دارا الو مم 


۰ یہ ایک تاک یقت ےک علم مر کی اضاط تروین عمد نوی لی نس ہو مالا اس کے بر خلاف ترآ گرم ی 
ضا ترون امت مہوت ہی و رآ فر 8 ک ےکم نے بول ری ےل کوج ا کے فلوم یں قا نک کے 

: اظ حا روو کے اتا ےق تھا ٹل خا کنل ٹر مودد ہآ پ کےا ںک امت پر برا تو ہ راسو گاج چ 
کیہ ال کے اکا زی الفا اتپا ر ل یا ترا رف (ازا طاقت شر ے فار ے۔ ار شمادے : 


تل پو الوح لی عَلی قليك َكُونَمن الارن و .ہ۰ ++ . 
گخ اس لق رآ نکو) مات وار فرش ہج بل ا نےکر کے می سا آے( ایی و 
: اارشازٹبایا ا . ۱ 
علي نۇ وۇزاتة م ذذ خی ثراو غين امہ (lz:‏ ۱ 
ْ ۱ ہار ے مہ (آپ کے تلب یں ا کا ر وااو رآ پک لن سے ا کاٹ وو ینا جب ے جمارے زمہ ے)آوچب خر رط 
سی ین ہار اقرش ر ع اکا اکر سے تیآ پ اس تاح ہو جا انی را کاب نکر ونای ہا رازم ے_'' 
(کد زایا e‏ ارچ موان کے اظبار ےوہ بھی کہم نا ہیں جیا کاخ رار پش ۔ 


طق عن الهو 0 إن هالا وى يۇى م 7:0 

ہپ و یس سس O‏ 

ا حشرت برای بن عم فریاتے ہی کہ میس بوت کے ل کو ا ے جو چو کی نتا تیا و سکوفو کل یکرت تھا وو کناٹ جن ی 
کے لئے ہوا تھا _ لیکن بے اض قرلیٹیوں نے اس سے ( کا او رکہارسول ال ہیں :آپ بہت ک پا جالت رضاء او ریہ تکا 
انس بعالت تح بھی فر کے ہیں مم یکی ے سب ہک ین ارہ و نے ےکا اس ل ےکک ماس بین امن گھ روف مان مو ںکحہ یی کن 
گمرمیس لکنا بن کروی اور الس بات کا زک ما کاو نبوت ںکما۔ آ خضرت کے اپنے دبا ہا رک کک طرف اشاردکر کے فرایا ک” 
ہے اس زا تک ٹس کے تی می ری ھان ہے اس مد س ےکوگی با کسی مال میں غلا فتن اس کک ' 

می جو یکلہ مرب قوم پٹ اوت ہمت کے فا سے ہس مکی تی ری حا لاس می دنک باب رک کول م 
و ویار بھی سا ہیس ہوٹی ۔ رچ زک ر کے کفوٹ اکر لیا ہوک تلوں سے چلا آ رمتا ا لے قوت حفط نصاحت وا غت اور انال 
ز انی غ موی بر لاتا !ال اکر اک دو رکے اط ے آرت ماف رکو کے حف بے ای تیا کھاہاے تو رن 
07 : 

اکاوچہ سے قرون اول متا رسول بقل ندال لام ایت 3 سم اسیک ا اسا یا نکیا تماعز 


) مقار جر ۱ ۲۲ ) ر | طجطر نل 


۱ رداق ری کاعال مہ ایر وتا ین یش ٹس قر ودروا کے اال ش رو معلوم موتا تھا وو سرو کو اس در جہ و قیت کے وای ترام 
ن تھے۔بچھ را وموں میس چا زی کی تھے : شمائ کی ے: / ا ہی تا ری می کنا لاف مرا وردان سے ہر 
ایی تار اعمیالن ںی ہو تا خھما۔ 
سے یرامیب ڈو کا سو ےسوورقا 
نے جو سب سے یه تیا زی اسنا ہکوج یدک امیت و ہے ہہوئے ایام رع لل ا ماریٹ وو ناوت رتپ کے اھ ر br‏ 
ااال" ےم سے روف وت راو لچ۔ 
چ راا ماک نین مب آل بفا ری کاو دآیا نے کی شر کرٹ 2 مرف ت ازک مر اتی او شای شاوی 
ام رابات کی کو لک رمعم حعدیث کے و ےک فی معموئی وععت کیک اظاتات عا کباوات ۰ محالات: قو پات رواب 
رات د ہے مم وضو پ ہزم خد ردا تک نی جانا لے وج ات یدھم ات کے قل اب م 
فرھائے او جیب یکا ب ا اتب ب رکا ب اللہ اور ہلاگ ے۔ 
eu‏ کیام بغار قش ورم م عل الت شرائ بول یں ادا ارک 02107 تھرار احاو کو 
) مز فک ے ف انا دک وکیا کروی ین رحب ا ورج تبول ہوک ا حقرات نے اس صن یں یک وج کک 
۱ قا دک ی تد س کن وات کیک صحت اتاد اور شتو عنوانات وھا مھت کے فاط سے بارکی لم فا تر ے۔ 
تیسرے دو رخ ی گم مز یٹ کے از ان شس اود او جال الوھک رز اور اورا لگن ناا ولش نظ رت مس ال 
ان ترات کے پہاں کار کی نبت تیر و اش تئر ےکم ہے یکن ا کے وجو ان سے سی لے می تروک ال 
مر ٹکو ای مصنفات یی ہرک زی لیا ۱ ۱ 
O O O O E ۱‏ 
غیں اور طبقات ایل مم یل ”کا سن" کے نام سے مروف ہیں۔ 
صاحب وة لام ول الکن الو عبد الل ر ان عبر ابل ا لیب ارز م0" رت 
ٹیس جو | عار ث‌ائل ا سار اورقائل اخ وی ہیں ا کو یناب می شحف کر 0297 کی ے استفاد اموا 
الاک اڑا ہے ےک رآ تک تول او رخ راو لر ہنا نف ملام ک ےن اخ لاس ے ایک تن یل ے۔ صد وہ 
ترس ایی علویل و قت وہ یزرا ےک یہال با رکم ریت مرن مو الھرا او رمشا رق الالوا ری اق رجی ہیں۔ چ الاسلام 
مولا شاو وی ا ولو 97 0 کور ری کک میت يراطلا موی تب 
کان وم اوک متام سر اموا لیکن ال کے وچو اک اد ریااضشتدے * صرف انف یں اکا نج بل 
کان تہ او وی لاعد اعم مر ی کی کا سرزیشن وشن پر ام پیںہ موک اقا یت :ال انکر سے ای افاة ار ے ہردور کے 
. اراب و لتاب کات رمت ر و رکیا۔ ا کل ری نے" م را7 لقاش وو السا“ ایور ہی نے *شرح 
اوو ري" اور" لوت شرح غارچ مر "لا مین دن مین عید ایی سے تی شرح ار "اور ”متا مرن شرح مکار » 
(اردو) کے م ولف واب قط ال ری خان دوگ یع شماہ را تی صاحب ومو نواس حشر شاو کہ رارز صاحب د لوی ئے ن 
متا جو مرو ران مر تدبو کی شرح مشکو کا خلاصہ اردو زان شس حر رای یکی اردوخواں حضرات 2 
اریت اس وقت سےآر تک نافال اکا ر رای ہے نر بالنادبیا نکی فراص ت ی ہا اوقات انارت کل ہار کے اوران لہ 
دن او عم دک سے پر یک ددر تر و کے ات تد یں و رکش مم یی دو ای دن یا ۱ 


مطارق ہو - f‏ ازل ٠‏ 
کر ہے اوردوا کوش می لک جاتے ہی کہ حا دی یکو وق ت کے ان دسا کے زرد رامت کے اکن سے تیپ ترک دی یک کو 
یرجہ بی موائی زک نے پیا ھاس اور خر ال دی کے انا بے لے مات ووت کے برخلاف ان سے با گار اور ۱ 
اب سیر ہزا تج لی رمات انام لاوکیل ٠‏ 

ہہ اع اٹ مسرت ےک مو جوائن زز ولان کاٹ جاد بر فارگ لو رفا ل لے اک ری اور گوای 2 
ایس ک ےت ”متا رن “چ وشح او او وق کی صاف سی ہا ن س کر ےکا اراو کالہ تال ان کے طز 
تی کت طافیائے وو رانا ای خدم تک وقبول وتوو ل فراک ھا 


) جر 
سام 
بارا رگا ای ونام ادارہ تاج ااحارف ینہ 
ورک 


pA‏ لاو 27 سان م ۹۷۰۶ء وم شش 


تن زت وت 
ااا قرو و ا | 


الحمدللهالذىار ستل رسو نکر يم لیھدینا الى الصراط المستقیم 
وصلى الله تعالى عليه و على الەو اصبه اجمعین ط 
ھر ای کے کین رقاب الین شا ھا ںاد لکرتا ےک اب ملق شرف مد یش شل جب :تاب ےکر ۱ 
شرن ا شش تر ری ہیں ا کا ترجمہ حو رگم النظی رمیرے اتاد بزرگوار مولانا قر ومٹا کر متا حشرت جائی جر اکن نوا 
غ مدا ر کے نے بے زبان ہندگی کے ٹین ا عور سک تیک کاتہوں سے اک کی میں ن آے لگا۔ مکی جاب 
موصو فک وی پا یک اکر بطو رشح ک ےکی را چارے پش ہے انس لئے اس در النائے ت رم و کا ارت لے دقر وکر ری 
اور قار ے کر متا سب منقام کے م وح لوچ ونو سے ضل م شخ قاری اور جم ضر رم عبدالک اورعاش مال 
الین کے اور سوائے ان کے سے یاد کے تر مت عا یس شش کی اور جاب رور سے کک ہے فال ےککھے کے ترک اس میں 
د کے اوتام ا کا مظاہ رق کی اکاک اس میمارت اک کی ے۔ ارا یکو قول فن اورم سب کو اي دار کی ) 
" اہم ترکر اوزسند اتاب مستطا بک ےک ناب !ضف الج قطب الد جن گان ارک الدبلوی فر ہما نے 
تضرت تیرو ی کیک ری مولو مھ اشن سے اور اہول ےی ضرت غ کیرا ر سے اور ا نکوا جازت سے ضرت شاو ول اٹہ 
محر ث دہاوگیے اور ان لوں اا وطا شرو رف رم الل سے اور ا لوخ ایرات کروی سے اورا نار ا رکاش 2 
جن ہد اتر دل شناد سے اور ا نکؤسی غین رجعف رنب دائی سے اور انکور رغم ر روف رکال س ےک ا نے وقت س 
كَ ان ےت و ا اضر ی رکال د میرک شاه ے اور را گا وارز ولوار سر چا لال دن عطاء الج سر غیت ال دک نل 
لن سید تب دای سے اور ا کو پک ال مقار یھ انل ال یی عبدالہ جن ہر الان بن تد لیف بن جلال الین کی ۔ 
شر رزگ ان سے اور ان کو مھ وقت اور رث مر رف ال رن رارم اکر ای ال سے اور ا کو علا ضر ابام لین 
مارک خاد ماد مدا سے اور ال عو مول ف لاب وٹ الین مھ رالا لیب الج سے۔ 
3 ا رکو اور السب 0 شور خطایں مارک حاف فر 
حسہنا الهو ز مم الو کیل علی الله نو کانالا حول ولاقوۃالابالهالعلی الیم اللھم صل علی سیدنا محمد 
والہواصحابەصلوۃ ٹنجینا بھامن جمیع الأهوال والافات و تقضی لنابھامن جمیع الحاجات و تطهرنابهامن 
اف سو سی مسر مہ بب او یو اس بیو ود مت 
20 سی کل شی قمیر* 


ظام رک جدی E‏ ا کیال 


TTT 


یرم چا ال تیال کے بی اترک اود رول یں جنہوںنے خدائے تا کک سے دنیاواوںکہت میں خدا پ٣‏ 
اور ایمان و اھا نکیاراہ سے روشا یکر ایآ بی بعش ما رک ٢ے‏ وقش مول ج ہک داے قرا ری ام یی ا ادرت ری 
| کل ل با خرائے وعدہلاش کیک تک جہائے پچھروں کے تا ے ہو ے فال بتوین کے آکے انیا نک عظمت قان جک ری 
شی یکی اتو ںکو چو کر لوگ فت وور تلا سے کن اغا او رجا کی چک م وشرو اورت وشا وکاروررورہ ھا سلوو 
اسان نیت ہب بر یٹ کے کے کن نیک کے کے ۔ ۱ ۱ 
ات بریے اک او مخت وقت میس خداتعالی نے آب کو تی تاب ا ا ا 
٣‏ با آپ و نے قرا نکیا لاق را سے وت اک راست دکھاپک ا یکی اہر ترات ےکر وش رک کیاکی ہو کرو ںکو 
۱ فرائے وا کےا نے لا رکاش دفو ری نانو ںکو اخلاقی و سان کے جمعورے وازا ود دک عاد يران ما نانو یکو 
ا اور کت و موا قرت کے لالہ زا رک ں لاگھ ڑکیا . ۱ 
اکا طر حآپ م نے انس رتاس ایی اقاب کی ایا اتلاب جو ام عام کے ے اث رھت وراحت چ 
ایز اس مرزشلن بر ایا ایا ری جوو رگ انان برادرگی کے مجن فطرت او مین مزا خ تھا ۱ ۱ 
وو رآ نکر اور ا کیم رایت اوروہ اقاب دآ پک اگ لمات او رآپ اسر اا 
E‏ یٹ "کے نام ے کیا ہاتاے۔ ٰ 
ریہشت اسیا ن ےک رانا ناک باد رکال ہدایتدے* ٹس شاملا یا وہد ات اورشریت اول وا اک طور بر ۱ 
کور ںام بیس رع ”ٹرآ "الاک اصوئی نما دی کا ستو ر اراک ہے ا کی طر ودا اور ایی 2 و گاے۔ 
مب ل نس عطررح ظا رآ نکی خفصاحت وبلا غت وزان وبا ن کا یاز الا اگ یتست ور خا ست: -۔ و ۱ 
ے قل فائا سروم مَفْلد کے پچ کے اس رنیاولو کیل وی جولو ںکون ارا ورور بک فاضت وباق کا 
کر واک رآ نکی یک سورت یا ایک چم کیک یکو شال ل کر کا او ند ر کی وی تج ککوٹی بین لک راا ہے :ای رح ای کی سنوی 
ومول اور کی کر یں کے سان یاناز و رعا ےکا ان کی اح علوم وموار ف اوز عاو اکا و اعو لابا 
۱ اس ےکی جاجی اول ج :گی کول کر کا اور کوکی چک ر سے 
رن کا ی ایل ا ار ا اک یرت ےا ےن ا 
۱ وکو او رئیو ں کہ عا جک ہملس چود دص دی سے علوم دمعارف اذ رحمات ولا کے بے ینا شی ےس ل کھت ہآ رہے 
یں اور نوا کین او دگرا 7 کی بی ہیں خ سکیا حجاصحیتکابہ عال کہ اس کے ایک افع لفظ سے بے شر مال و اتکا کا 
اتخیاطا روو ر کیا جانا پھر ا ری تانز یجان نو تین وت تق کی ست یر ےد 
ظا رس ےک ان بے شار اور لظ لف ہو کے ہہوئے علوم ومواز کا لکال لا یتوں کے بجا لی نک ریہ وم یس تر 
کر رووا گر نا اود ہا کو ود کرک ار کان وشر او اسیاب و موان تیت وال ک۵ ؛ ہراب کے نای جیا ت کا ن ) 
کر اش دو جبات اورستتات وم نکی تام تصیلات اور ان کے اکم یا نکر نت امو جوقرآ ن یتیل رت ادرال ) 
را کے لے ری وا نا کے :ا سے بتر ولت ہا کان کر لن ھی 
۰ رام دنا انان Ea‏ شس بس اس کے علوم جیے 


مظان بب ْ ۲۸ 5٦‏ ار ای 


سر یتر 74 کو TPT TIE‏ ٹب ا 
کہ ترآ جس مزا کلام کا ان سے مور ہو سے تو ا نکی نی جم اور یدگ کی رورت اس وبل بھی ہی کہ ووقرآن کے 
اہ اوی اور اصول جلوں سے کت ہوئے فا مہارف کا ادرک اور جودسال ل سے مر دو یر ای اچم سے 
رو نمو 
معلوم ہوا کہ ج بترن کے اجا لک قصییل رور ں امو لکت مام زا نشل و سے لھ د ہے ولا کال قران کے عو ) 
ملاب اور ا کی راو یال یکر نے کے لے رسول ہت الوم وش اورآپ کے از شارات کا تارج ہونائیزا ںا سے لے 7 زرل 
کے لے رہ تاضردی ہو یوک اقآ نکی شت اس در جک موک کس وکس ہس کے کی ومو رولف ی را اور ٠‏ 
وی کے مال کر سلا تورسول لا کی لعشت آعوز رنہ ایک مر کک رضرور قزار پا دبلللہ یہ ہو تک رآ نک رک سرش رات ` 
ارا ست د نواس اتاردیا جانا اور رایت چا دانے ا سے شور استقاد وک یی ٠.‏ 
کر و O N POPOL TAR‏ 
وط کے لاب اللہ می جا کے ور پ دای تکامتصرحا تس ہو کے ایا قراو رق روں جب ای ا ب کور سول ناز لکرما ےت و لے 
ای کے مقا صر وم طالب ٹرش کے ورای باکر وا سے اوز اس کے ر موز نابات اور ما ویز رقیہ وک کر وچا سے ۔ 
رر سول| کی امو کیا جا تا ےکہ دہ خداتعال کی لو ق کواب 2 2-2 (aE‏ ام 
وزو راڈ علیہ ترت خان نعط اقول غل را ےیک : ۱ 
کان الوحی ینزل على رسول صلی الله عليه وسام وبحضرہ جیب اتی تفسر ڈلک۔ 
(تر جمای‌!السنڈ۱/ ۱۲۳ 
حضرت و کو تپ کہ E‏ را تھے جو ا سک یتفم کر ر“ 
٣‏ چس منوس یپ سم کہ انت 
2 سے دنیادال ںکوروشا کرای ادر اک کے ید مطالب دای رواک ری ۔ ا رشا در بای ے: 
لدم الله عَلى المي اعت فبهم رشزلا دن شوم بٹلرا عَليْھم ایانم برهم وَيْعَلِمُهُمْ انب 
وَالْحكََةُ (آ ل عیمران آ یت ٦٦‏ 
بے شک اللہ تال ئے یمان دالوں پر ب؛1 ان دک کیا چیک ان شش ے یر گاب اک اتکی 
تاج اور ا نکر اک راہ اورا وناب کش کی با کے ۱ 
ہت گیا آپ کی نت کے متام رم کا مال کی تلاوت اور ا کی EE‏ نے بکہ 
ل ا اتک ات ےکسا بک م کروی ی شر کا ےب رامیت سے وقریان اورجو اا زرا 
واا کل می سآ تے میس ا یکو ھ شت تک بوتا اور وس مر گیل خو رک کر کے رتاو الو کول کر نای ورال ی کاذرنیضہ ے۔ 
ور نے رانک ریت وا کات ےر وی ر ا و رشن 2 ۱ 
۱ رجہ وہ اپ اریہ او اکر راس پھر ورو ںکوک یکر ےکی وکوت سے اک یکو ہار لھا کے ار شاو فا اک یک مم پچ شان ۱ 
ن ےکم ارک ہاب ے ج یکو یافبان بنا ےتو ضور 4 لے ا کوٹ یت یں ؛ ا کوھت ہیں مرادات خر اون یکو م ی 
ٰ کرتے اد پ پل وا ہت ور وت کے اکھج رک ہاب آئے ہوتے اک 


IT 


. ٭ظاہر ‏ در کک ۳۹ ظ ول 


نات ہیں اور نہ رف ے کہ نات ہی مک تم اد ا کیل اپ ل سے اپن ل سے :اپ قول ن ےکرتے ہیں 
اک و مکو ای لک نا1 سان وہل ہوجائے۔ 

اور ! ار لیات ہوا اگ رسول آل ر اکر ے اور ای کے مطالب و وم e EN‏ یکر ےب صرف 
ام انا شوم اسے پچھوڑ دیاجاسا توق دہ ٹوک مج نکی برای کر کے ترآ ن ناز لک کیا جیا یری پھر ا کیا مرا رکو پا کے اورنہ 
ال کے طالب مقاصد ھا لکر کے ادرقرآ کرک جو سرپشمہ رایت ہے اور مرف ل کے لے از لکیا ا مد وو انال زن کر 
کے نے واک کر و کاو یکا مششلہ جن کر رہ یا ی کے و میس سل انبا الن مار او ترقیات ے پیشہ کے لے کروم ہو چا جو 
را ترآ نکر ایت کے ز رلو ان کے لئ مشیر رم تی کو 

چا یہ آبیت پالا ے کی معلوم ہوا کہ اللہ تیال سے ہا ایاان والوں م احا نک پاک امان ی روات اور قران کی دات 
لوازا یں کیا نام ر اک خود ی یم رہطا کر ےک ذقہدار کیل موی کا ا یں سے کی رسول یوی 
نس نے شرل تک ان کر شال کاو ر پچ رقرآئن از ل کر کے ای کے مرا کے کے نین اور اس کے مقا ص ری وشاض ت کابار کی انان کے ` 
نین قل رم یس اللہ اکم کے سب سے نے مصل مکو ان کے ی د الہ ود قرآ نکی تیم ےہ اور اس کے یو طالب 
ارم قاصرے رتاو الو ںکو ڈیا وکرےے۔ حدیث کاقر نکی ش راد کایان+ونترآن او رزیاددوضاحت سے ثایتہگررہأہے۔ ار خاد 
ای تخا ے: ٍ 


RAFI ۲‏ یت رین یس ارز هچ ركز دس٠ rr:‏ 
نے قرآنآپ پر ا لئے تا راک ہآپ ٹوو کے ےا کاب کے داب یاد زم ھکید ٤ج‏ دا 
لہ ارک ای میس فور وگلرک ر کیں_ * ۱ 


: ام نے 72000007 مط تام انا ورا کنو کیال یادداشت سے بک طت‎ 2a 
شرت اسلائ کاو ستو ر اسائیا سے ہل یس دن و ش یعت کے اجام مال اورعلوم ومحارف ؛تیازئی شان سے ا کے ایی ایک فط‎ 
اور سط رشن ہو سے ہوئے ہیں چوک ہٹس ان کہ ای اور یقت ت ک نی سم سک بس لے اس کے پان ول اوت کی تہ‎ : 
وار" ای آپ و پا یکو سی جار: ےا لے ےل رآ پر ! ن2 0 مو زوا تاور | لم رش پر دی وک شا ر زی جائے‎ 
) ںاور ےب کک کر عقیقت لااو رد ر کک وی طا ووت رک ج جوا کے شای چان انی چک آپ کے زان‎ 
اس کے کات کی شرع کی کے علو مکی تی رای کے‎ ê کر اورفلِ و کی تیت کم سے بورخائ ایال ےکی ہے ۔ اذا آ آپ‎ 
٣ ) رازا تک کن وم کے ای و کا کا انیا ےا ور را اذات ئا وت ری 6 اع مار ر ار داد ی مت‎ 
سک قرآن عرب می :از لکیاگیا تھا چیا کا مادرک تبانج ع ی کین اس ے ہے مت الاک ”جب قرن کے سل‎ 
۲ ناطب رب تے اود رق رآن : ی کے سا فی ر کوت گے شش کر رہنتھادہ ابا زان ول مان کے فصاحت ولا مت کے اگ ر رج پر ے‎ 
7 توا نک قرو نکی تش دلو اہ کی لکرنے کے لے سید سر ےکیاضرور ت نمی سی “اہ یک ات ے۔‎ 
۱ الیمااھی سے جس اک کوٹ ی اج تس کہ و ےکہ چ ب ان ساز ون نے اوی طوریر ایک وستور اراک ع تب و منظو رک کے کک‎ 

پر کک دیاہ ےتوھ راس رتور کے ہوتے ہوئے قالوق سا ادروں کے ان زل این اور سربراہ کلت کے جار کردد ان فراشن و 
۱ ھ07 و سے مجن سے لوس کی ری پل ری سے او رج شل ال کون قالوان ریش ہو ئے۔ بل وکیا و ضتور 
سا کی تع وتر اور ا سک ایل ہوتے مس ظا ہرہے اع نکی بات اتی ےا سآ کے جو مرف ےک کو 
سےکوسہول رور یا باحو اور عاللت سے طا اشا کاو اور ر ر وار اور انال انون ے9 اتال وا 1 20 سے ہیں 


کن 6 وپ جب <ط.. 8ے FF‏ لوال 
کن آسالی و ستور ا ای تق یق رآ نو خیرات تھا کابرادراسٹ اما راہ وا نظا حیات او رانو ے ٭ 7 نے وط و 
ہیا ےک ےکا ب نہ صرف الفاظ کے اتتا ر سے اقازی حشی تھی ے بک موی حیثیت سے بھی کروی ہے جس کے اک 
کڈ کی علوم دساف +ور اکا سای کے درو پا زائےپشیدای نک اسان می سای :ان سے ۔ ۱ 
ٰ می شک ای سفت یا :ٹوٹ کے جن کرد کو کاقول ام اوز اگ سے قول ےگ ۱ 
الكتاب حو ج الى الستةمن السنةالي الکتاب۔ (ترجمان السنة ٠٠٣٠‏ ۱ 
کاب اش نیک طرف زیر تاج ے ہہ تہ ت کے کاب اشک طرف_ * 
جا الور اس اتو کے تشر ےکک : | 
1 د اتهاتقضن عليه وتیین المراامنہ۔ 
گے ag‏ 
ْ ا اس قول تو کے ہو ۓآ ی کھت ںکہ: 
فكان الستقَيمنز لةالتفسیر و الش رح لمعانی احکام الکعاب۔(تر جمان السنة۱ ۳۳۸ 
۱ وا تاب :وف کے ھام کے لئ متو ہل اور شرح کے 
ای یں ہے بی مات واو کیک رون کی یل ورن جوم ریف وخ نکی صورت مل ہے۰ دہ مھا الد 7772 ا 
حور پیر کو امو رک کیا ماس سے اب اتا نہ دارانہ طورے عیدہبرآہوئے؛ لاٹ کم کی ینیل دنر کم ْ 
توا اورت تول یکرت رر .تر نکیا صلا جس ان ہے جر بین لت مس مانز الیم سے رط ہوا ہے بد خود 
ےم کی اصطلاع یش ”وریش “او ر”سنت' سے چو کور کے ارشاد حدثواغعنی الخ او ت شع سے tp‏ 


ان کال ول ےپ rg ee‏ تس یش ا کش 
رن اڑول ےلو صدبیث ا یکیفصسیل :اذا اھا کا کہ میٹ مات قرآٹی کے سے ایشا ے لات ترآ ل سے لے 
یل ے مکارت ن کے ے تیر ے ١و‏ قرات تی کے لے بظہارے۔ ۱ : 

سا رد کن کا ین درک سا را نمیم کرات : مات اود وکا کک ہو جائے ال 
سر و شر 

تس طن یکرم پل تق نم نا کے ہار مور او رپ چا کاوجود اورے وس نے e‏ 

آپ ORE:‏ آپ جن انت :آ اب کا مقر اسوه ات کے ےل دا یت چ ہے اور آپ ہت اال 

ا اب پا کے اس وح ےکی پر وک اث سارت او رگظیرجقٹ ے_ ٣‏ ۱ 
م ریثک چت : :ان اش" اور "ایا ا لر سول“ رجت ا و 
) ہی شرع نداد انیت ادد ا کاو میت ی یکل اور لک ام صفات پا خقاررا شروتی ہے اک شر رسول پ رانء 
اود ا کر مات ر ہو ت کی صر ول سے تصر کر بای لام ے۔ 

ب لیے ابی چک و رک ل فک یداد ہے و دچ شزا 


| 7 | یو مزاول 


تالوںی 9ت O‏ ٥7ت‏ 7۶7 
۱ ضروری ےت نر عون 0 اورک لوٹ اطا ح تو ٹرائبردارگئ ۲ جائے۔وہ تو ے1 سی اواتون و2 راماناجائے۔وہ پول کےا یار 
٣‏ یکر جاتے اور کا وی لمات اود کے لے ہوئے اس ا نک رغ کردا روات ابا کے 
اكم الِژسْزلْ فَُْذُوْهُوَمَانَهَاكُ عن اهز ۔(الحشر ۵۹:ع) 
”ر رل ( 88ے جو رک ھکیس وی ے بے رہو اور سے انہوں نے روکلے رک ہاو * 
امش جہں اٹ تلاي اھان ا ےگ کت ے و اتپ ایاناا ےک ماضود گار ریا رد 
۱ بہاٰاے؛: 
ھا لین مر ڑا اللہ ؤزشؤلہ والكاب ا رل على له والكتا الَأ ازل بن قبل" ومز یکفز ٰ 
بالل ومَليكته كه ولب الۇم الاج رفَقدضلْ ضلا بيدا السا + IPY‏ 
ے ا مان واوا امان رك یمان پر مض ڑیا ےق رہ قد اور ای ر سو لت اپ اور اک ماب چوا کی سے ا سے سول 
راوتا پوپ زور کرک جا رسک ا دراگ شس کن موا ادر 
و مآخر تا ودرک کریش ےگا ٠‏ 
لن ازا باللهو مله ولَم قاين أَحَِمَنهُم ايك سزف باجرهم ط- (النسآء” (ter:‏ 
وذ چ رلوک انان لے سو ہس مت رب تال کان ۱ 
ےا ےگا ٣ ٠‏ 
۱ تما اهمون ال ین و fla:‏ 
مکی یس وی ہیں جو شقن کھت یں ال تال اور ا کے رسول م“ 
ملم ئۇم باللوَرَسزَلفَالَاطَذْنَالِلْكَا رن سرا الفح »۰ ûr:‏ 
ادر ال تال ادر ال نے رول پ راان د لا ے سے ان ککروں کے لے رامول اک تار ری ہے_× 
ايها الاش قد اء كم ارول باحق من رَبَكُْفَاِلزاخیرالگ۔زلساء> ے4 
ےا وکا ے شی ہار ے پان فی کے سای دو لآ یا نر بے انمان لا؟ ما AS‏ 
ان آیات سے معلوم ہوک ٹس طرع خدا تھی ب اورہ ی کے فرشتوں ب امائن لاناض رک سے اک رح اس کے رسول اور ا کی ٠‏ 
۲ یی ہو کاب پر یمان لانا اور ا نکی ترا نکر اجکی لازم ہے اور جو لوگ قرا اور ای کے سول پہ ایمان یش لات بارس لکی ۱ 
تمر ہی سکرتے وکا وکر یں جن کے لے تر اماب ے خت یزاب اورداگی ضر زان یح ان 
نس ںآ خضرت پچ کی ر ال تکی تمر او رآب کڈ کی نوت پر ایمان لان ےکی قران نے زور وکوت وی سے ای 
طرح حور ولا کیا امتہ رگا کے رات یا سر ا انس دوک 
٦ئ‏ کا ارتمادے: 


اك نامز یو ١‏ لو يوا الْرسُول و اواز اد مح (rr:‏ 


مان جو | ۱ اص 
TOTO‏ 
وَاطِیُْوا اللَهَوَرَسْزلَدَانْ 3 ومین ۵ -رالانفال» :1( 
”اور اللہ نھان کا اور را اک ر مول اماو ا اما داسو“ 
اها ال اما يو اللَهََرَسٰزنَهوَلتوَلرَاعَلةُوَالئم كسمن َکُونٌ۔زالانفال۸:٠_‏ 
ان والوماوا ا ور کے رسولکاورہ بیدا درا ہم لو“ 
مَنْبطْعا سول فَقَد اط الله «الساآء+: (Ae‏ . کت 
ْ نے رسو لاق مان توب شب انس سے اٹ تخا ئی اطاعحتگی_'' 
انها لن امنا ايوا اللََوَاَطِیْمُو!! شون و لیالامر نگم ان تارم فى شَنی ِفَزدوإلی اللَْوالژسُزلِ۔ 
فا میں 
رس رس رر 
ودرا کے رسول پل ای طرف ٠‏ ْ 
د ورك 9 زم عَی ىكز یما جر يهم ؛ و ملق شیپ حرجا متا تبث زلملئز 
سلما النساء ٣م‏ 
لم آپ کے دروکا کک ر ہرک رگ ا دا بای پک 
اک تج یہ اک وآ پ کے فیصلہ سے اپ دلا اوک تپ یی کے اود اہ کو ایھر ے۔ َ 
وما گان ومن َل یتو اك قَضی الله وَرَسْزلہ مرا ان بِكُونَ لَهُم ارهن أئِمِم ط ومن بعص الله ول 


حر ا حر 


ققد ص امنا رالاحراب +٣‏ ۳) 
کی ایا ال رر 000 ۶0 رر 9ر 
ر اور چوا فیا کر ےگا الد تیال ی اور ا کی کے رسو ل کیآوو بل شب اہو نکر واا“ ۱ 


ے الناآماتدسےے علوم ہے کہ غ داور تھا امان کے پارے میں و مین و ورور ی قرا ٹر رو ےر ہے ہیں۔ 
: 0 دای ذات اور ال کے لاہ او راپ پ مان لانے کے ساتھ گا شردراہ ےکہا کے رول کرات او رضوت پ پر 


او راا یمان لایاجائے۔گرکو یخف سآنحضت کا ۾ امان س لاسا یا آپ چ کی راتک تر فی سکرتاتود دش کے 


خدائے تا یک ا طاعت اور ا کے !کا مک فرانہ ارک کے ساتھ 32و0( پا کیا طاعت وف راشب رارک ضور کے ا 
0 تح سیک ریم کڈ کے ا نکاس مان رب اسے یا آپ لا کیا طاع کرجا ےن وآویادہ خید !تال کی کی اطا عت وف ایرد ارک را سے اکر 


کوئی ہتحضور ڈو کی لاعت یں کر ادرک 8 کے احم سے روگردا یکرتا سے تو اس کا مطلب ے ہوگاکہ وہ قد ال کی ۱ 


ا طماعح ت کی کر را ے 0س کے ایام سے را رپ ہے اورقا ےکسج تنس نا کے احکام کو ہیں اتا ا کی 
لاعت نی کرت وللت رکرو یس اہو اہے۔ : 


و ری یی راو یراب 11 کل ہو تزمسارانوں کو ہر ٤‏ وہ شید | تال رفداقال کے رسو لکیطرف رج 2/7 گیا 


ٴ راک طرف جو کرن کا مطلب بہ ہےکہقر نکر نیش اپنے نزو ں کا تین کرب رسو لک رف ر جو کے ہے ی ہوں گے . 


اہی با r‏ ۱ ٰ جال 


۱ یں ات‎ FTO TINT TOIT TSE, 
گوگ ایما نکی علامت کی کہ ہے لہ تراحات اور ا اشتلاف مل یکر کی کو ۶ اور صل ن قرار دس ےکے‎ 
آپ پت ےیل کے بع سی شک وش کن باق د رہے اود اس فصل ہے ا ےرل کو ئی مس دہ ےت‎ 
اڑا انس سے جچہاں یہ علوم ہو ہک ہحمل یمان کے لے غ کی ذات اور ا کے اکلہ کاب بے ایال الانے کے اھ رسو لکی‎ 
زات پ گی یمن لان اضرو ریا ہے وڑںے بھی شابت وگ اک طر کن ای جونداکی واب سے بدو ںکاہدابیت کے لے رسول‎ 
ازل کی پان میں اور بلا کی وک جو غا کا ینام قبروں کک ینپا سے شرنعت ٹیش بجت سے ای ظمرح انیا کرام کے‎ ۱ 
ارشماا تھی تل جت جس کک جس سخ بایان لاض ورک اور لام قراردیاجار با ہوہ جت ہوگی اک طرخ ہی کے شیج اور اام‎ 
) گی تو ےہ سے تھا نرو کرای اک اپے ام اعات اد اقات کل مو کوک اوران کے‎ 
نملو ںکو تل یکرو اور ج گم دس ان لکروخود انکی تی تکواہ کر رہ نے‎ 
اگ رآحضرت اڑا کے اقوال افحال اور اام چب تہ ہو تےتونہتور سول ف ر الت پہ ائیمالن لا کو ضر ورک قرار دیاجا یا اور تہ‎ 
۱ ا کے اکا مکی وگ یکو اما نکی ملا ہت تاب ا اور یہ بل ھی نایا جاچکا ےک یمان ای ایا جا سک ے جوم تقاط ۶و اور‎ 
" اطاعت وڈیانردارگی اک نکی جات ہے جوواجب لی ہو اکر وو تھے جس م امان لای مارا ےک رو کا جاری ے جت‎ 
قاطعہ اوروا چب اام نیس ےآوظا ہی ےکا پر انال لانے یا ا کی وٹ کر نے کو ٹیگ ہے‎ 
کی پان لیاجات ےکی ک۷ فال ذاقوال جع کے کو نکنام مد یٹ "ےریت اسلام یل مج تنس ہو توو اوک جو یکو‎ 
نیس انا کے اتوا و افعا لکیا رد یں کےا نکوکافر ری کناچا ہے اس ےک وچ زی یں ے اور رس کاو جب الیم‎ 
ھ0‎ O واس یس ہے ان کے بک روک کس‎ 
تا‎ ad ہوڑی کے اکاک یر دی کے ا اج کے فصاو ںکوجو قوا ل کی کل بیس ہو ے میس اجب ول‎ 
یں معلوم باک قرا نک رکم کے سا تج نی کے جا ہوک ے گام ا ن ای مات ورایت اور ان سے ارشادات نکو” مز‎ 
) E کے نام ےت کیا ھا ے ش ریت قل بت ہے لہا در سی‎ ۱ 
۱ ای ےا لک نایا ایک یت سے اکا ان انا جات لزم ے ل کے بے یس خداون کرک‎ 
۱ ۱ کر ہے۔‎ 
فااختذتالنگاذ: بن سیر ا دترا کم‎ 
* ۔ے٤یگر ”سے ان کرو ںے ےرک اک تیا رک‎ 
ار ۲ یں کامطا کیا رمعا م وکاک مد ٹک اتاو ا کت ویو تیب ئی‎ 0.8, 0 ۱ 
کرم پا کی حاتم رک تی شرو موک گی ۔آپ کڈ کے اقوال ذ ار شاوات اہ کا اکر کے کے اور احادییٹ مہا رہ‎ 
) ک کی کر انار تالت سے ارال را ا‎ 
: سے او رہ ودر کی نے تم نکیل الت رطا بعلم اور رکو ر الت شس ہہ وقت کے حاض اة نارم ت و یی‎ 
اوی ت شرت سے روا ی گے میں ال کے پاش اعاریٹ بو کک سریایہ سب ے زیادہ ھا اور وہ تو دیا کر سے ہی نک ما‎ 
0 حم ارد ین مرو بن العا ي ۲ کے ملاو کی ددرے کے پاک چھ سے نید یک ا‎ 
| : تر الو رہ کک ہا نے ل‎ 


طائ تی ر ) کے ۳۴ ٠‏ راق 
پاننکان یکتب ولا اکعب۔: ار تامع ' 
20 8 ك۳ ٣‏ ۱ ۱ 
سد ھی کے پارو فرت الو ہر ؟ کا ایگ دو ریا ےک 
"0 فان یکنت اعی بقلب ی و کان یعی بقلبویکتب بیدہ۔ شاو FA" ۸۳ ٣‏ 

دائ جن گرو آنحضرت 0 گی احادیث )لکا یکرت ے ادا نک حزیا گی 1 ہے تادر ص رفس اد یکر ارتا 

اٹہ تا_ 

روا بات سی بت ہوتا ےک تھا رت ات ت لرا ژور ای آحضت ڑا ہے] رت CT‏ 
مر یٹک اح ارت ظا اک جب ہارگاہرسالت سے اجازت گنی اورپ ج کا اء ہو آ وآپ 7 ارادا تکوصحا نے گے 
چنانچہانو ری یڈ اکاروات کے آفری الفاطی یں: 


استاذن النبى صلی الله علیەو سلم فی ڈلک فائنلہ 
انہوں کے( “ی ضرت دال ن کرو نے تاب ت حدیشکااجازت ایاپ ا ےاجازت درد گا۔ ٰ 
نا شرع خود ید اللہ بن سے قول بې رت 
قال رسول الله صلى اللّعلیه و سلم قيد العلمقلت و ماتقییدہ؟ قال الکعابة۔ ۲ زومر 6غا *! 
آحضرت ہے نے فرمایاکہ ام وطق رکرو نے رک کم تی یں ط ر کیا باسلا ےآ آپ ف نال 1 
کک رکر رکفو اک رلیاجاے)- 
”قرت ہد ایل بین روب لھا کا مت حدیٹ کے سادا می ئوہ ادات ا فریارے و کہ : 


کنت اکتب کل ب شنی اسمعہ من زسول اله صلی الله عليه ولم اریذ حفظه فنهتنی قریش وقالوا اکب کل 
شيئ لسمعەورسول الله صلى الله عليه وسلم بشر يتكلم فی الغضب والرضاءفامسکت من الکتابة فذ كرت 
لک الی رسول الله صلی الله علیہ وسل فاوما باصبفہ الى فيه لال اکب فو الدی نفسی بیدەمایخ رج منەالا 
الحقی۔(اارازد نا ؤڑ) 
٠‏ ٹیس بی ںآ ححضرت پیا بان مبارک سے ابا رک کے لے کے یکرت تامیرے ای طز لک جب قرف کوخور 
۱ ہو یتو انہوں نے کے نکیا او رک اک ہت ہ کو جورسول ال ان کے کے ولو ا لے چ رر ا نے ون آرییں ا 
آپ پا غم کی حالت می یھی ہوئنے ہیں اور خو ی کی ال یں کی زاش کے سے ر کی اور اک بور ہآ خضرت کا سے 
ہے ااپب 6 نے فر ی اکھد اور اپ دان مار کک طرف لے اشار وکس فرایا دنم ا سے کی مات می بھی ان 
اور تلط ات یں کل کن _ . ۱ 
حضرت رائ بی کرو کے لوو ور ھا نیج بآحضرت کنا ےنات میا ہت ول ê‏ 
ا نکوا یازت ممت فرائی چنا لھ ایک صحالی حضزت ران من فر ہمان ےک کے ب ر کاو توت م وروا ست خیش کیہ یارسول 
الإ “اب کی 0 ہت کیا تھی کے ںاور ا کون رر ےرس یں ۔ مار ےا ل کے بارہ شآپ E‏ 
۱ و من 7 ٹلا کےبرشاوات کت رہ ںیا ایس وا آحضرٹ Ê‏ ر 


ای ےت ۳٣٣٣٥٥.‏ کر کل 
ٰ ٰ اکتبواولاحر ج۔(نزاعمال ٥یئ‏ ٰ ٴ 
ول رہ ال شی کول رج یں * 


) تررس ا 0 
: فو یٹ در سامتہش ماشو او ر کی سول ےپ E‏ کو رسوا آحفرت یئ ای 
وا ۱ 
استعن پیمینک۔(' ازور اسا 
ہے اھ سے پدرداویش یکل ایاکر و_* ْ 
TATO‏ 4 ہے و ان 
آپ چ کے ارشادات مہا رکو عاو یٹ قر ےکی انت کے کے تدرو ھا ہہ نے ا کون کر اشرو کر دی ت او ہآپ E‏ 
۶ ھر قرا سے باج اجام یی حاب و کوک ےکر ومک رگ اکر لے تھے 
تق اب ھکل اور ا نکاطریقہ تھا وو یکر کا کے بازے میں قول ےک ہآب پل نے مکل وا سام لے 
جھو ھے تیارکراکر اٹ عما یکو اوردوسرکی جگہوں بی ےکا فربااتھا۔ چنا نچ حشرت ہا ن عم سے ےک شس ردامیت سک 
کی خضرت لے نے ایز نکی کے ارک ایام لاطو کے پا ا سے لے ای ک کاب الصد 3ہ ا یجس می وافور ل 
کی زکوۃ ے تفآ اماد نی کیک ای عاللوں کے پا کیک نوبت نکی نی آئی اک ہآپ 4 ا 
جب صرت ابویک آپ خا کے جا ان ہو ےتوانہوںنے ایپ کک لیاسو . ْ 
یرت جہدالل کم سے قول ےک 1 
ااا كعاب رسول الله صلى الله عليه وسلم ان لا تتفعوامٰالمیعةباھاب ولاعصب۔ 1۱ک نا ص٦ھ۴)‏ 
خضرت لن کے زا ی سآ پکا ایک نوش مہا رک ہمارے یل کےا پا چس مد سیت بی اہم ذالورو ںی 
سیک ہو ال اور ےک امم مت لاہ ۱ - 
او شریفکی ابکرواست ےک : ۱ ۱ 
ان رسول الله صلی الله عليه وسلم کتب الى اهل اليمن یکپ فی اراش والس ودی وبعث به مع 
۔ عمروبن حزم۔(عا۲/۳) 
قرت یا ےا kL‏ سی کے اھ ی وط اس وشن می کر الو اور نوناک | 
ای تے۔ 
۱ سے مت کے وعمال کے بعر جب یا ب کارو رآیا 7 و مر 
کاپ نے آپ پا کے ارشاوا تک کے زور اک ططائظ تکرنے می اور ے اض ا کا ش موت را حطر الو ہر ید ڈ کے ارہ 
۱ میس معلوم وکا ےک انہوں نے ہنحضور پچ ک زک میس می تک تات خی کلک نآپ کے کے وصا لے بح رآپ 5 
ےم راداتاو ویک تات لے اک ہو کید سر ےکم ری انم مور یا اہ 
رت ادبن نا کیان ےک ٰ ْ 


مام ری جد ٹک ک5 جع ٰ ۱ و رال 
تحدٹ عندای درب قمحدیٹ لاخ دی لی افا کیام حدیث ایی صلی لل عليه رسام وقال هذا 
هو مکعوب عندی۔ ( انار امھ گیا 
ارہ سے یٹ برے دمو وہر کک اپ کرس ماود یٹ ای رھک رک کے 
مر مے پا ہوئی موجورہیں_'' :. 
حشرت ال رر کک ہو احاد یٹ ک اناو کے ہار ہے می کی ران ویک پیک کی می شارت ےک : ا 
کت اخذالکتب من بی هرر ةفاکتبهافاذافرغت قرأتها عليه فاقول الذی قراتعلیک!اسمعتۂمن رسول الله 
صلی اللەعلیەوسلمقیقول نعم۔ظارل ۳۸۵۶ 
ےس اتر E‏ تا سے نقلکزح جا ہلل ے فار مک الو ری کو سب سنا اشا اور خرف سک یکرت ھا 
) کےا کوجو بج تایا ےوہ سب نےرسول اش 88 سے سا ہے وہ قرا سے ےک إن۔ | 
ضرت ایق عهمائس کے بارو یں و خر ےکسا کار چ کے سے جن سآ تحضور بد کی|حاریٹ یی ایس چناج 
۱ حضررت تک رر سے الف روات مرن ھکیس ےک : ۱ 
ا اد موا علی پناس من اهل فا یکنا من کب نجهل بقراعاریم یغد و برقال نی لیت | 
ا PAF‏ 
۱ طائف کے پجھ لوک حضرت اہن بای کے اس الع کے جر ھن اگ TN‏ ھی ہوئی یں او رہ اکآ ب ٣‏ ) 
" یں سنا دس )رت ان بای ےر اس یک مدعد عرز وک و خر 
ہا اسان او ر را جوا رایت کے سک یس دوفوں برای جیں۔ " 
۳ رت الین مل اوی ہی کہ : 
۰ کتاناتی جابرین عبداللهفنسالەعن سنن رسول الَذصلی الل عليه وسلم فنکنجھا۔ (AT‏ ۱ 
ارک حضرت جابر جن عمد اللہ کی خد مت اد یں اضرو سے تھے او ان ےا خضرت کر کیو ںکو لج کو ےک رکلم 
ےج 
۱ ان کے عطاوہ او گیب کی روا یں قر ل ہیں جن سے سیر موا 22 2 ب:-: ‏ :-, تامار نو یگل 
کیا تکیاکرتے خے اور انہوں نے آحضرت لٹا سے براذ را ست اتاب فیس فیاکرعلوم ومارف کے جوگراں پیا موی 
ارشادات د اناد یت کی نل یں ماک کے ے٠‏ کور کڈ کی وات کے بحر اک سرا ہکو اخ سیت سے سغییہ می ل کے 


زت 


اہ کے بعد جب خر as‏ ا ےک جا ےی شرس تابعین 
م اد نے اعادیث وی کے خی کو کر نے اور ال نکی ون ناوت جس تارمل کاس کام ےکر اس سلسلہ ااا 
بے امجام دیا جک ر؟ ا ففاظط ش:. بدا لزماد(تامقی) سے تول ےک : 

. کنائطوف مم الزھر یعلی العلماءو معدالالواحر نف ھک ھت 
i‏ کے ساتھ لاہ کے پاں یں نے کے لے بلاکرتتے تھے زا بن مات یال او رکاذ کے تج کے س سپ 


ا ی ۸ ا کيټ 
لہ لاک رے تے_* - 0-2 ۰ ) 
اا7 کے پارہ یں صا جن کی ا(١‏ مان ےک 
اجتمعت اناو ال ره ریو نحن نطلب العلم فقال لی تعال حتی نکتب السنن NS‏ النبی صلی الله علیہ 
وسلم۔کزالمال ۵۔۴۳۵ | 
”بات طالے ی را اور ز ہر ا قزم FE‏ امیر ۔چايہ نے بکرم پا میٹ 


Ef 
ہے ےا‎ 


تر نکی اب روایت ے 27 


فال رجل للحسنٰ عندی بعض حدیٹک ارویه عنک فقال نعم- ۲6 روه 
بی تح سن بی بک مر ہا ںآ پک الگر عمش کم و یکر بپ ےار 
امہ وی × آ بے قربایا یہ ہاں- 
١‏ ہی یی شر شر یی نیس و Fa‏ 
٤‏ بل تیت کل کی اور رور ہس رر ود ہہ 
تن اود ا کاک ےک داکیاتھا چاچ لبا رک کاروایت چک : 


ہہ تر یت شی از اہو سہتہ 

”ضرت حم رن کب رارز نے تام اطراف ساطت مس فان کیک نک رم شا کی تام امار یت ما کی مج سے بعد ار 

جائیںی۔ FF‏ 
چان اہک رین تم اوقت فلاف تک انب سے ینہ کے یرای تے اک پاپ فران پ چو انہوں نے ادیک 
جن اکر نا شرد ]کیا ای طح ریب وزو کے بعد ان اعادبیت کے کی کو ے ان کے اس تیار ہو یئ ےج را تی وربا خلافت یس انکر 
کی لوک ی سآ کک حضرت عمربن عر الح کا اتال ہوگیا۔ ۱ 
٣‏ مالین کے زما ہے ایس SAS‏ 
بر ھا او رمق می نکشرت سے ارت صر یٹ کے مقر فریضہ س فول جے وو رآ مضور چا کےارشمادات و اعاد یکو جک رن کا 
کام بے ان اک سے جار تھا اوران رات کے پا ساد یف کا یگ بہت ڑا رای تہ وکیا 


رارزا ت کیان ےلگ : 
۱ مر ھتہ کت 0 
۱ نے مم سے دی برا دی نک ھی ہیں۔'' 
نزک ا فنفاطتی یس حضرت اکنا ہا ر کے علق تول ے 7 


(Fl e 0 


”اہو نے ای یہو ن عدیٹو کیاروا ی تک دکوتا نکتخر او دل 
باللا کن رب کرش : ارازگ كايا چگ  :‏ 


) ناج رت و ْ ف ٌ۲ لے 
) گٹپ عه ابو نعیم ران سرت 6 اظ ا ٣‏ ) 
”الوم ےا ےکگیاجزار مرش نک رنکھی ہیں * 4 
ای وو رٹل ابیت ھر ب بب کا امام مس رر چی؟! کي کا اروز لک روات ے ہوتاے: 
قال ابرا یمین موی قدمالنوری ال الیمن فقال اطلیونی کتاباسربع الط رالد افاج ) 
: ابر ای ین موک راوگ می ںنکہ ایام تو ری جب کن مگ تو(عدی ٹک کات کے لے انیس ای ک کات بکی ضور گی ا ہوں ے 
وہا کہاگ ےر سے کے ایک نزو وی کا لوحلا کرو 
چاچ اکت ہ۶ نیف مرق ادنو تھا کا پک لو سے رک N‏ میں یی کیا7 و 
ا ۱ 
ایی ڑگر 3ا حاط شل ال وواؤرکی ردانیت کے : 
۱ لم یکن لحمادبن سلمةکتابالاکتاب قیس بن سعد( ارف 


را بن لم کے پا خیش مین سح دک یا بشھی زس میس و نکی تنک ہوک اعاد یش لی ا " 

007 ب07 اورا وم ی ا‎ E E 
شرو وھ بت ر ملین کے دورس و کی لک واھ او رکڑرت سے علا رین کم می مصروف تھے۔ چنانجہ ایگ‎ 
کت ںی اس و لف می ای دو رٹ قعدہ شرو مول و لف علاء ےآ آحضرت بات کرت مہا رک سے تفر کوشوں ر‎ 
رای تیگ‎ 
ہت نان موک جن عقبہ اور این اھان کے پارہ شس قول ےکیہ ان بز رول نے اک وور یس طزوات اور ےت تبوبی جا کے‎ 
وضو اتا یں میں 0۰ اام وزاگه نام این امیا رگ۲ ابام فيان‎ : 
و رئی :تمادن سلیہ اوج بن عبد ایر کے احا سی کی مم اتان کناہی ں تی فگیں_‎ 

او ترا کی زمانہ سے چ بک اام کے ےا ہو آفاقی او رگن زی کک سر E‏ ملاظ مکی 
روایت سے معلوم ورتا کہ کزان می مھا اتن مر 20 کی ےب ونم اشا ن تصانی فا بان تاب ال اب الارب: 
اپا a‏ فی ہیں 
اور اام لوف کی تصانی ف تاب :لانر ا اپ 2 8e‏ و روتاب رنه 
وقش وور شآ یں 

ا ا ی وو وت اور 
اک تیب وروی نکر کے وہ ام اورم الغا کت تی یس جو ج ہوارے د ریا علم و رفا نکا نار ڈور بی مول ین جن سے 
لان صد بت الاب کرت یا وراپدا نم وااو یت بو 8 ےکر تدم توں اال ےت 


ار ہجو OF‏ بلااول ` 


شوہ ا 


2 ا سا ۶ 99 8 0 بے 7 9-0 اپسپ سو ینم رجنب ہوا چھا ا سکیا شا رالو 
رکش ٤ب‏ ت کول فرق یں 
لی ںآوقور یف اک ایا تو وچاد ایک نیت ہک افص تک طرف چک بب کرک 
انی پر اتان ٹا اك لون موجور چ اور اس زر اثر اور عور و اتا کاو ونا ایا پاتا ے اس وقت ہے گن یا ند 
شمادالی کے ات ال ر ےکا پر احات ٹل جاک معلومے ؛ مصنفات او رکماہوں کے ور چات شل رمث ےا صو ھی 
نظ کے فاط ےکا بک تیپ دیا سے۔ مشلا انام قاری می کیاروا ت کے ملوب پہلو انی قوت گر یکا اد مظاروکرت ہیں۔ 
ام ا ایک حدرث کے متیر ر ر کو ر د ہے ہیں- اعام امم ای مت ر کن امک ہاب کل مل رر EE‏ 
۱ ارات U‏ رع بق کت احادم کا شیا زیڈ خصوصیات بي اور ترا لے پک ار دی ٹوارییں۔ 

کن ستاو مصاع کے نام سے اعادیث کا کت ہے اک خصوصیت یسک مرف مجان ترک یرم وفوق باب 
اھا ر ت شاشح الا مان ی متو رز و یوو تر وکاواتر زرا ی شم وچررے۔ 

عرو و سرکی خوی ویک شر اال AEA‏ کہ ان لاٹ میں ان اجار یٹ یکو ٹم کر کا ارام ام میں یں اہ ی کے جک 
9 ایک ما ار یک )گور شوا ری ہو بل بض لوک تواس طرف کے کے وع اران تارف ا ایک فول زنی کے ے اعادیت 
نو ےکی لی تلق اکر ےکی خر سے مض وجورم ایا تا نان ہآ خ گی عرلی ارک می ا نک وکا ست ہے مقر کر ۱ 
کے ڑھابا جانا ے اور ا کا ی بب ہے کہ تخار ف کا ارا اور ا ,31ئ7 ہیں سے نس مین انتا 
الاب ہو جںرے مر کی یی اکر وا اک اورنہ اتا ایازم وک یس ےا ل 4 ۱ 

ایک دو ری ہشیت سے ھی نظ ڑا کے اکر بغار کو فز “لہ ےک مات میں ا کا کرای چات ےآوزوکوے - 
اہ س کہ ووصوفیہ کے علد مل نب درس رک سے ابر صوفپی نے اپ ازکارو اتال سے مو رکش حدم یٹ کے اس وع ۱ 
کول وہ سے ماس رکھا ےک اس یش کی ووسر یناو لکی رح ییاز اطا بیس ہے۔ 
۱ سس LE‏ ظل فو اد ےتک ۱ 
کل سرسی رتحضرت سی اتب روک بر راہ صحبت کر ہے ےا نکا سے یاپ رگن کے ساسلہ میں معمول تھا ار لوچ شر فک اترا ری 
#7 اکر تاتھا۔ در کی فی ذقہ داریتوشاہ ال شر بعر کے تو ۳ یکن نات ور ت کا اظہارخورسیدعرتوح کی فرای کے تھے۔ 
٠‏ کاش الال جو علرم اکر ای اور مات شرعیہ کے موضوع پیم اظ تاب س اس کے تخا دیل نظ فیصلہ ےہ وه 
ورال شی شرع ہے۔ جن لوکوں نے تی باب سے ہہ ٹکر ا تحار مد یٹ کے لنداز پیک ہی تشر ری ہے وہ جاسنتے کہ شاه 
اح بعرم کو غرف یکا عار کو سا ےہک کاچ جوا ہرز سے قت کے ہا ر کل 

پرا کاب برای تق با بای یسل م کے ہو ر سب سے زیاہکیے کے ہیں حن شا ین نامرف ا ےکر و ری 
21 ا و اا 


منظاہ رن جرد ) 4 ۲ | پیر اقل 


مشلوۃ رفک لیے FT‏ ای کے م رتب اور یرون کے سل ک کے فلاف سل رھت ہیس ا سکاب 
کو سے ے کے ہی او رآ سے ا چ 010 روآ تی کی وی کیا راے۔ 

فلو اتاب اشن کے ام ے جوحقہ ہے وہ توبرابر یلرک توچ ای طرف مہزو لکراتار بے الراڑلوں کے ای - 
وضو ھا سے وناب گان یہ کہ مو تاب اش ن کو سا ئن رک ھک راچ چاچ اک باب م کت کے مات ۲ر 

اہ واک سقول ں- 

وای یی زنر کے سلسل ہم ںآ پ میں ےہ وہ اب تہایت" مکی یں کیت خاد رو زضردرت آل تی یں خلا 
ریاوا تقار ٠ا‏ عنام الاب والسٹنۃاسماء اللہ اور ال کے دورےالواپ۔ ۱ ۱ 

موہ خی ور کل ”سا ہہ کنل رین شی ہے جس می وا “ہل الو ین بن مسود رہ | 
کی رھد اڈ علیہ ےا فت کے الوا ہک یتیب ب وو ریم الشان اعادیث کاخ وع کیاتھا۔ 

ما خو نے مسا کت رشپ دوفلوں پ رق کی گی ہی ال می انہوں نے مین نی بفارک و رما لک ردایت و 
احاوی ت کو یکیاجھما اور دو ری ص ل ور اہ و مین ملا اام وراد امام ری سے مروگ عار ی ٹکو کیا شی نیز نہوں 


: ۱ نے صصرقب اجار بت کے ر اکا وتاب کے وا ہے سے کے اور نہ راوگ کے نام وک ر کے ںہ 


ايزا ھی دی ای کے کیل ار عادر رت یفالت او ہا ھب ہر اڈ لیب اوی اجرڑی 
ےر اف ا 7 

آپ نے سب سے یکل تو ا سکاب می 1یک یری نص لک اضائ گیا اور E‏ رص 
) اعا وی کوش یاک ور ن ی ینار و نان !عاری ٹک" ای اضافہ قرا اتاب ادام یار نے ور 
گیا۔ ۔ 

سر ےو جر تار وا اش دی تہ 

تھے جر ی سے کل راو کا ڈک کیا ءء009 اکا 

ا طخ کنا بک ایت زین ےآ ان کک 

E I سب ریس‎ E EE 
سے او ہآ کک ری دار٠ اسلائی در گا ہیں اپنے صاب ور شی اا کو شا لک اضرو ری ق ری ہیں چنا چ آع کی تام می‎ 
دا شل تباب صحا سد سے مقد مگ رکے عا عائی ے۔‎ 

اص لاب صان الس“ یس جار جر ارعار سوج وحن )۳٣۳۴(‏ عدتیل نی 1 ضر ور نے و نے جن 
امادی کا اضا کیا چان کہ ار ا جر ساسا ر رچ شری کا اعاد یشک تعداد ero‏ 


مقا رکا جرد 5 چ ‏ پچ رو .وڈ ۱ ۱ لوال 


صاحب مقاب رک اور ا ناسلل یز - 
”فاترا ن وی امان ہن رکیل تار اد وا ناک اب ےج ںکی شعائوں ےکی معنوں مین سب سے بل زوا نکی 
کروی ناج ”م میٹ ت “کی جوت جال اور ہیں کے افراوآسان م و حرفت رقاب وم ناب نک گے حضرت ووی ال یک 
زا گرائیہندوستان کے مین کے لے مار ند ہے او رآپ کے اع صدق صا جراد سے اہ تالحر نے ' خائندان ول ال ”کی 
ی س تکوحار جاند لیا کے اور حضرت شاا 2 چوا دا ر رت ا این قراریائے۔ا 71 
م خخاندا نکی و ہستیاں ہیں جن کے "لار سے ہندو شان یں ”ف رت مرش کے رمال کال عنوان ے یں" مظاہ رق“ 

کے مولقب مولانا وپ مھ قطب ال ن خان واو یکا سلسلۂ ہز تی گی سے او بت ات نالیم یول کے قر اعرا ہیں 
٠‏ لئے جار سے لا : ) 


71ھ 
۴ر شوزل 1۷۳ھ جار شت 2 سار کے وقت راو آپ کے والد محزم حضرت بی دارم نے نے وقت کے 
ات یک مین القدر الم اورزبروست صوٹی ےآ پک تر بیت ات تنس :نز نرا ۔ سب سے بی آپ پا سال 1 رم کب ۱ 
س راق ل کے ے جال نے قران شری فک تم شرو کی چک آ ب فطربی ھور SEE‏ 
فطربی جو م رای اتر ں سےآراس وز رتشا ہر کے ےی لے آپ ست ات سالک مر قر رن بی متخ مک یا ازج والد محر ری 


.تس کو ممیت نے بی جو ہر دکھا یک ہآپ نے ال چوک گر آد اب ؛خلا قکیان ہیں ٹ ےکر ہا کک بک یڑک ری کی یں 


یں رین. سن لست ویر خاست او رکو کے آوا ب و ری ےک کی یکی مات یس مکل ہو گے ےآ بکاعا ‏ قاعرہ اک 
اس عھرٹش بھی جن ب می بڑے سے با تکرتے خواد و ہی مرش ود رج ہکا آوگ یکوں د ۶وت ایا یں ارب ے گاہس ےیہر 
7 جوا ب رایت دقار | وین 7 رد ےرہ و اور سا تھہوں ےک الو تر سیب و سا خا کے مرو سے تباز 
UE‏ ۰ 

ری اوی طزل ںی رکد نی شردحگر لود چند روز ترت مر یں ل 
عرصہ می فا رک کے علوم یں رورغ عا ل کر گیا فا ریو ر اتب سے فراغیت کے پیر صرفد کوک تا کناہوں پر یور ما لک 
و الک رٹ سآ پ شر لا نے گے تے۔ : 
آپ کے وا رک ہی کہ دس سا لکی عمرٹ سآب عزف وتحو کے علوم پر ال طرج عاو ہو گے سک سے سے ی اور 
۱ موی جوا نے علم وف لکی باب عقت وت قکی اہ سے ر ار ےا فان ن الک ےر کے 
ا کے حول تک ای شرد یی ۔ یہ ھی فی فر ر کید چا ہجوت در کے ال ہی 
تھوڑے بجی قرم میں مم ےکروویا۔ 

چو دسا کیا ر ںآ پکی شادی مرک کن ر2۶ رکیل ساس زی شف نے مارک تا ب شاری یی کال 
آپ نے تفر ضضاوئی اٹ دال ر گم سے پک اور اس کے مات ان علوم میس بھی کائل راد حا ینغ یت ا 
٣‏ ول ورای کے زی یت اک مال وال روا ے یمرک ورتا ساس افو اس 


ر : 7 جک ۔ مز 


پو ئے۔ م اصوف راب نے تامرو نک اورا ا کا رورا اور کاچ و اکہبڈے ڑے 
) مشا صا او رعلاء اکسا صو کے ہا ےر ن عقر چ چ نے کے 

جب چودہ سا لکی کرش تام علوم تار وشن اولہ سے ر ٹک ری اوھ رسلوک وط ریک شزاون کے کی مر لے 
کر لے توو الدب رگوار حخرت چ دارم نے ایک وگوت عا مکی بس میس ال شہراوربڑے بڑے علاء ضلا اور فا بطورخائ 

روک کے اور ال ي7 یر ول راوازس اپے اک ہوخہر لق کے سریردستارفقبلت ہنی اود کی ماما جات 

) مرصتفائی۔ 

والد شرم اال کب آپ ا نکی سند در کے صدرشین اپاس او روات و محقوو تککبکاور دیشر گا 
تو ڑ ےی رم مآ پ کے در کاش ہوم وکیا اورروررذرے طالبن اپ آي ا مع و ولت ہے ایا ان بغر کے گے۔ 3 
وتان م کم ری کی بیاد ارچ دان ووی ےڈ ای وراک کے مورا او لی تکاس بھی اس کے رار حت ہیں 
) رر صغریں می ٹک تر دنو اشاع تک “ی سہراخائ را ول ئل کے ہے اک رند وتان ار ارڈ ای جا أئے اور یوت 
کے الا تا مال کیا با جات تو معلوم ہ وکا 81 کی وقت اور سے مٹروستان ب چات وطلاا تک رک ھا موی ھی۔مسلرمانوں ہے 2 ) 
0 ہو یکو لکل ترک کر دیاخوامہاں تم کہ الام گان شش برائے نام بای روات ۔ ا سکوئی جک 2 نہ قرت ن بدا 81 
نے اس اتو ل شی مد یٹ :قران کے علو مکی ترک تا بد اچاچ وچ رک ۔ لین عالات اکر کے تھے کہم اس خرای وت یکو 
رور کر کے چو ر لوں سے مسلرافوں کے ولوں می تیاور انا مکاروداے اص رم کامیاب نہ ہوک لیکن چوک ہنرو انگ 
رزو علم مر نی کی مقدی شعاکوں سے منورنہونا تھا اس لی ان کے انال کے بعد را نے اس مار ام مار ایک اورک ر- 
کس تج سی ہناد مضرت پت را" ےل گی۔ جنات حضرت شاہ ول ال کے والد کرم حضرت شاه ب دار نے رالد یل انل 

ام پرجوآ کل نول کے نام سے م“شور ہے آیک در کی اد رہد تھے * کے نام سے ال جس می علم مرک اضابظ 
میم شرو ہو طلب ای غا کنر اوش میٹ اک لے نے گے وراو مم حدیث ےکا دہ یہی یداہ گر 
۱ رت شاو عبدز ال ریم نے ”حدریٹ ' ولا یزار ا شش یکیال ا ںایب اہول ۔ 
ات آش رکارشادول الس نے وال ہروا ر کے اتال کے بح رر رتجیہ س نم کیا ذیاد خود ان کے دالد ماع دی دال ڈال گے 
تھے ت کد ری دیناشرو کیا دہ سای تک پورے انہک اور زوی وشوقی کے ات وک کے چغ فو سے نہ صرف یہ 
ہز وتال بل عرب وم کے فل کسی راب نرایا۔ ۱ 

اگ رہ باد+سمال کے ابس طول رم سآ اپ کیم کال عو کو 0 + ۷١س‏ 
ناش کے سے وقت کے ڑے سے ناء تید ت سے مرم ے ےا نعل رکی جوا یوت نے ا سی سکیا او رم مدیشک مزر 
کل جات ی کے لے رت سر ادها او ریلم معقے کے لے روانہ ہ وگئ_ 

۶۳ھ می ںآ پ مرن ش رش نکی نیارت سے فار ہوئئ ال کے ب کال ایک سال مت رم شرم او رم نیو کی ہاور کر . 
) کے روما خویش دب کات ما لکرتے رے وو یتیل کم کے لئ لا و صا دک طرف موجہ ہوئے: سب سے م آپ ین مھ 
ورائل اکن بن ھن ین سلیمان الخ ریک خدمت شل ماضروو کے جو آپنے و کے سمل الترر یرٹ اور رشان شی اتا رالا 
با جا ہے ا سا لئے ری عم تو ارام کے سا مجحھخو آجی ےہا ماسب ےم اپ من کیک کر ادر 
رن ا بن یما نکیا نام رد ایت کا جازت ما ٢“‏ ی۔ 
الب راپ ارک ھا کک مک ندمت یروج پک ل نوت ٹصاصت وبا غت 


مقار ہر ۱ ۱ . ۳. 5 ۱ ور ْ 
جیسی صفا تک ناب ال عرب شس زی E EEL‏ رککتے تھے حرت ظا 
صاصب بے ال سے نہ صرف کہ مم حدیث ما لکیا اور“ کی اکر ےکر کے مز اکا فی کی ابا تصوف وسلوکف کے ایی . 
ازل گی ہے کے چاچ دہاں سے فر ات کے بعد جپ آپ رصت ہونے کے قو اتا نے اعادىی گیا جازت وگ او رخ رق 
خلافت اپنے تھ سے پہناکز رن آنگکھوں س ےکر انق صاع کے ساق رخص تکیا۔ 
اکسا ل آپ رق اع الین ی کی ضرفت شل اضرو ےوران سے بقار شرف کے خلاوداحاو یشک وکر ولو سا 
کیک کی امازتلٰ۔ 
زین سے کل تر لق r o oa‏ 
: ھج درک تت سے مشرف ہوئے۔ ارہ ۱۷ھ سے اش ینک مرحت راوس او اجب ۵ ۳۴ و بج کہ 
ررد انوزہویے_ ` 
رم سے بای کے وھ رآپ ےدرک سیت ےی کی شل اخ کیا ن ہاچا ےکہ عم حد یشک شس ری ے وپ۷ 
لپ ووا کیرک تا ای کے سا کر متور پود 1 7 یس وہلی کے چرس ر سے وف بیو کر اط را نے یا ٍُ کو سم رت 
یں اس طرح شادصاحب نے اورک شان وشوکت اور عات و منرت کے سا تھ و ربت ت کے سند د رل پ یک رحد یت نوا کے علوم ۱ 
ومار کوپ رسے ہت روانش چیا اور اعد ہا سی اشاع تل ںی وآ تک ندوسال لو وریا ری یاس تب 
گزنئفہس ذائقةالمو 7 مت ج بآ کا گا نه حا ت لی موا او تر ۳ سمال ہا اام یس رفات ال ارہ ی وت ٣‏ 
7ئ 


خضرت شا 7 ا 


حضرت شاہ ول ا“ کے جار مشپور اور کیل ارامت ہز شہ ی لاور شاہ رن الین شا اف 09 
پاردں حفرات علم نضل ٹم وف است: قوت نرہ نصاحتہ یر توق وت رامت ودیاخت می ا اور لاطالی کے جات می کار ۱ 
۱ انا سب میں حضرت شا خر الج رت و زت :و عم قل کے لا سے سب سے متا ہیں اورکک دہ زا تگمرائی ے جس نے 

:ا سے غخانذا نکو تام کی رت س روشنا کر ا تج اس شی سکوئی شی ہیں کہ اکر ال یم خائ ران میس شاہ ع الحزن کاو جو تہ ہو وے. ) 
ارا کرای کے تر ے اک لک وت دقمت اور شرت ون موی کے اس مرچ کو یس کی کا تھ و جوا کی شر تع سے 
ل ےکی ی ل ہو 

آ پک مارک پو ش۹ ھام مول اور شا دل اھ یمم اپ اورقری تی کے زمر سای نماک اتا روک سے 
ےڈ اک رل کنب میس وای کے کے اور ران شر فک لیم شرو ہوئی چک ہآپ نہ عرف ی عطوں با فطری طورپ 
اتر ون لیم ای ون لٹ ماوربے حدطباح ت۱ سس گے بہت تیگ 17 یس قرآ نک ری کی اور رس ام کے بعد فارکی 

کارا تل مل کی وراین کے بور دوجین رال کے مخ رعرمہ میس عرف و نحو اتا کر ڈگیں۔اس کے بع رآ پک و یم ) 
۱ اہ و ال کے ایک تال فلیفہ کے ز مرگ رای شرو وٹ یدد سای کے رم می آپ نے وی کک ملف فون یس ترت ایر 
رقاو رکامیانی رل " 

تو سا گی ویآ صعمول ورک کم کے عطاددصرف نو قہ اصول ان کرم ائ بن زس وت رای نشی خان 
تون ے زراضت وا کر ے۱ وم سے راخ کہ رآپ اپ دلاخ ابوا سو مکی 


لام ؟ ا ا ۱ ) ) r‏ ۳ ) ۱ ۱ طر اڑل 


جھئے اور ریثک لیم 4 سس رر مت نے نام میتی اشا سیت والدیز رگ ار 
یں ہآ پک ع مکل سے پد رہ سال کی ہو یک تام وم دفو کیل کر ذال ر 
. چوک ہآپ کے غات ران میس علوم تقلیہ کے علاوہ عاو م قلیہ 1 ای ردارج غاا ورشاهو یال ادر گاویٹس ج ادد یٹ وتفسی رکےےعلوم 
لے شخف و ناک سے بڑھائے جادبقہ ے دہاش ن ایک م کی اع پاد پر وک جال یشھی اس نے شاہ راز اس 
ھول کی مرم ایک لان یاشی دان ؛و رقاب نع ی کی ین کے تھے او رارت و فی اباق یں رک تھے 
۱ نیاو قرا ر لوم عقلیہ یکی نیل اوران یملز یکیل سے فار ہو کے تووال نا خضرت شاودل ال دارالقاء لو 
۱ سمدحاد سے اه صاحب کی اوفات کےا لیر 7009-9 اشن شا ازز ماح 7 ٹرارماے فا رن کے اتال 
سوق تآ پک عھرصرف مز بر لتق ی فیا نآ می بح رھ کمالات اور فیارسو نکی ناء یر ڑے بڑمے خلا ءآپ کے وردولتکی 
یں سال یکیا آرۓ 2 رکشت ہے طلب اظرا ےت ارآ ب کے چ ے علوم سے ای ی یک کے تھے۔ ) 
آ ب کے پارہ شی صماجے اتیاق انیل کی شہاوت س کہ رتیت م ص ی کان ہندوستا نکر اور نت زشن یآ کے 
والد یوار ناب شاووف ایل رہ اللہ نے لویا اد رآ پ نے ا یکا سے خو گر سے آہیار کر کے ١سے‏ خا یت خو شتا اور تہال لود انا 
انو ند دفوں شس سرمیزوشاداب ہوک ر بے گا ور رکو ےا کی عرصم دوردور کے لوک اس کے وول و کل ے واک لہ ت کر ) 
ERs‏ 
رت یام را جر ہے تخت یہ بے رک جے اک رمز خفابت موالن: 
الف دونوں کے قاو بک مم کم کرٹ یی ا کے مات یآ پکاحف گویلوح تقر ےک انسنہ ف تھا 5 ناب رھ فا جو با تن 
ہجو ںکیتوں ید کے ے کو وی _ 
) مال آ پکاذات الا ضقانت خائ ر ان وی الیل کے معدن OT‏ 
یکر بی :اود ا کے ساتھ یآ پک شل قاف شل کے ارا ہام ویول سے زی یں ج یآ ب تاب تام 
ا رو ں کوت کرد دی ہیں۔ 
وشل زپ روتقتوی؛ ان و شولت: زت وت ے کم رآ پکازت رک نے اس ایام ات کی شان سے پپرے کے اور 
مات ش ول ۱۴۴۸ح لوم کی ہک وفع کے وقت نی انرا ھی جار کے سا تھ کی بان ان آفریی کے رو کا۔ e‏ ) 
راجعرن۔ 
۱ فت موا شا ھن صاحب ہا کی ریہ 
ححضرتت ما یراز صاحب E‏ رو سن ساج وی ں یں درگ سا دی ۲ ۾ پل ۱ 
ساح ے واا ان جی ےکی ے حضرت وار | E‏ ۱ 
موا اھر | تی صاحب کار ولادت ۷ک ا ۱۹2ھ ے شاو کید ال ززز ساح ےجو کو لڑکانیں جیا ای ےآپک 
ام ت رت چات ولا را 027 عرف بوڈ" لاور نامت کاپ نے پنےا انراز ےکی 290 
٤‏ ر 


ید لہ کے بور کی کے لے حضرت شع راع 2 شالب کے اکم ےکل ری 
کے بعد ترد رل اد Ae‏ سی شس 


تابر مړ ۱ ہیکت ۱ گل اؤں . 
کار ری اپ 2 رار اا سے رہے۔ 
نت نیدی کا اتا اور ر سول ال تا ےکا لد آپگئنگ۷ الا از عقام تھا چا ہآپ کے سوا ہا رت مر 
آپ 91 ا وگ یکا ترت نے تن سیرت کے لاو صن صور کی 
ا بھی :الا ما کی تیا لئے پچ کی شا یآ پک نات اورش راف تک از یکا اکرتیگھیں۔ او رآ پ کاچ دی ےک رفوو ں کون 
جو ارتا جاک ی کرم م ححب تکا بش جن مقزس تیو نے پایا وہ یقن اک سورت وسیرت کے ہوں گے۔ 
ا جب حضرت شاہ را حرج نے سفآ ترت کول قرا ل و کون خھدانے اتران ول ان کی یاد کا ما ہآ پ کے سرپ رکا اور شاہ 
ف Ee‏ تن O‏ ام متقرین دو شگردوں ٹ ےآ پک طرف رتو کیا رآپ کے شر علوم سے لساب نیس 
TS‏ 
) حضرت اہ یر الح ا ا ی 
یٹاک ںکو حاصل ی لین اس شان وشوکت ثروت و رفست اور چا وجلا ل کی موجودکی کے باوجو رض قرا سے تھا یکی خوشنووی اور 
ا راج E‏ آپ کے دیاز مق ری کی طرف سفر ارت کا ارادہ قرایا اور ال و عیال حا زتشریف نے گے وہا نآ اپ نے ) 
7۲ انح رع بدا ۓ ر نون و 
) یہاں نیت ہی لوق خیدران ےکی ریا ماد کس صا سے ذرلتہ ا نک رو عا رمت نرا کے ر سے لیکن جب بندد تا نکی ۱ 
اور ضار رو وبرعات اور طلا لت وکر کار کیا اور ا سای تعارجے راوید دیریگ بیت چات توآ ب ب کل : 5 


ول برواشہ ہوگئے اور یپا سے کرت امم ارادوف یہ و شبرے سام ا کے 1ز ٠‏ 


موجہ یھر وس ایب شوی سس یہ 
نہیں امت انی رفاو یں ۰۷۳ ۱۴ع می انال فرایاہ 


مات کے ملف حرف علامہ نوا ب لب الین خاں دبو رہ رہ الد 


) آپ دی کے ایک صاحب میثیت اور وجا مت ظا ندالن کے کم وت ا تے۔آپ کے اداد ہیشہ سے بارگاہ سلطان کے مقرب 
رساو رات چ لیل کے مل کے بڑے ماع اور ہی سے حا کے ہو کید پر دای می زی فک اہ 
سے کے جائے تھ ادرادشاد وق تکنظروں می آ پک نی رت قی۔ 

آ بک پیا ۹٣ا‏ کی ے ابتائی تر یت کے بعد حصو علم کے لے حضرت مولن اشا مر 52 سے شرف ۱ 
دئے گے اور ان سے الاب فشک او رکم عدبیت شی کال حاص کیا ان کے علاوہت رشن شر لی کے عام کے چٹ علوم سے کی 
ےر 
۱ شریت کا اح آ پکازنگ یک ای متام تاؤ لام ا ر تارکے سے پوو ت اوران سے ان مشا بج نے حضرت 
لان اح وس وھا ھا پکو کر کون ما لکر اہم ٹل کے اع رجہ سے کے ما واد کسر ہد تق 
عبات وریاضت اور خلا دع کے ا ئا وصاف کے ما ے۔ 

آ پک ی زئ ری اسب سے شاندارکارنامہ موچ شری فک ارو و رجہ اور شح ”ظا نی ہے۔ اس کے لاہ پک تصانفکی ۱ 


سے 


رارت ہج پک لک کاریں ارآ پک تروف سے کے : سے پلا 


o. EE e ۱ E‏ جار اڑل 
مات ساق الجر 
u‏ پہی نت ین بن وو الفراء ا 


آپ قو کے رے دانے سے جو نمراسمان شل ہرات دم د کے درمیان اکاڑل ےہا E,‏ مو ریس 
ن2 گی یت کان می سکھاجا تنا ےک آپ انز مانہ کے ایک یل ارجام فقیدلمشال مرت اود ری کشا رتم فور ریگ 
اور ےش ا باعل :- رک تھا ۳ او تت کے نما نو A‏ و اشوا اور اا کے برا وت 
7 وو گے ریم منصسب پ آپ مق فائز تے۔ 
ان علوم کے علاہ قرات می * ینار تحتام ره اور اک کالما بن چو دونقارگی سم ET‏ 
عم مل کے کی لی تمصب پا ہوے کے باوجود اور اچ ام تر یاددنیاوئ اہو جلال کے پاد ف مزان مس باج ہیاس 7 
ےکی اور اکسا رک تھے ٰ 
زی وتو کے ال مرد اپ دج 7 لاب ہیں بت ا 5ھ آ رٹ لوٹ کوٹ کے ہو اما ا سے مدکی کا 
براوش مور تھا دجیاکے بیس و راح ےکوسوں دورر جن تے۔ الاک ونیا وی عطوںی بھی پارو نشم تکاجومقظام آن پکو ی کل خر ول 
کی ناپ کرآپ اق تودناکی ام یں اور رای ںآ پ کے رموں یس ہش کین زہر اتنا ایا اک ہآپ نے بش فک 
رواک کرھٹ کے ام لورے گے کپ ےنال زبدداستقرکی ی لفت اف رک ک ہکرجب شاک ردوں نے عو ل ر9 ا آپ سروف ۱ 
کیا ہیں :ہیں ایبات ہوکہ ا لک ددےآپ کے قب روا در اخصاب پر ضف کالہ وجا سے اور رند سام جرخ مت 
آپ انام در ےر سے یں ای شی عقوت ادرف کو ہے لال یداو جائ ےتوس کے بآ اپ نے رفاک جر 20 0 
قرو 020 سے اک کالما اگرے تھ۔ ' ) 
”کی الست“ کا ملق بآ پکوبراہ مامت پا رگا رسالت سے لاتھا۔ مور کت ی ںہ آپ جب ن بور 
2 ایی یت مر ںی سے قار ہو ہے ےو ایک رو زنُواء اپ کل رار ووا 1 ایگرم ان گی زمارت ے رف ےا وت 
حور غ ےآ پکوخاط بکرتے ہوئے یہ دوائیجملہ ار شاو وای طحم کے میری کو نی صفیف کے زر لوہ ژر ہکا اک 
مر ال تال ہیں زندد ر کے “جب ای ےآ ” کیل“ کے اتب سے مہو ر ہے 
۱ آ پکیازندگ یکا سب سے موورکارنا ہآ پک مشہورتصنیف سائ اسرد ےج فة شی کی ید او من ےآ نے 
ىا ست اور یگ ستو ومحتبرتنایں سے احاوث ےا زف ہکوہ کر کےکتب فقہ کے اواب رمت رای آ پک ددم لیم 
ای لقن مو 1 تر ل سے جو قرب نکی تنا 2 ادد جآ پکوتات ۲۱ہ ش٢ر‏ داش ی ۱ 


"و :6ھ چلال ٠‏ 


چ صاحب مز الماع 


علامہ و الین بداد تن برا لیب اتی تی تک 
آپ کا ہام نای ”ر“ ے۔ ل حطر ات نے ” جو "ھا ےلین نیا ارہ جم اور مت پر کے ھی سح نیت الو عبراللہ اوراقب ۱ 
”ولال ر“ ےس دالم دماح رکال ہد الہ ہے۔ نا“ ری یں اور ” خیب تیر کی سے ہو ر ہیں- 
آپ انے وقت کے کیل لق رعا م ند اہ مث :فصماحت ولات کے ١ہام‏ زہرو وی سے فش اور ال اغلات دعھارات کے. 
ای تھ۔اٹے زمانہ کے گان رو گار شیوخ اور اس نزو سے اکتاب ع مکیا ور جن بے شار لا وان اف کو ےمم و عرفان ٤ے‏ 
مستت رکا ان ٹس ما ارک شاوسار ی رر ست ہیں۔ ۳ 
: اپ کے عم کاب سے اہر ۃ مصاع چچ سے ام سے موچ ادر دی شک ید تاب ال ہا : 
ے۔ آپکی ای ام کاب کووتیا کے الام میس اظتبار ورای تکاج مق م تیب ہوا اک یکا ابا رازہ ارچ کے تراہم شض وع او جو ای 
اس طول فہرت سے ایا اکا ے: :ا © باش تن تان اش ”ازمل حن نید ای AD"‏ شرع مہہ 
زا وا سن لی جن مو نلم الب جار © او "از داز ہرک © ”ق تر وو“ رز ورالد 7 
بین سلطان گر ہردئی مروف بد لا قاری 0 "شرع ر ارح شاب الین الوا بس اح ن مھ بن صلی بن ج © 
”یق او ازسید رف می بن ر ہا ”ماق وو گر سیر ا اید اف - ® ”رایت اروا 
الماع ود اریخ غ اوا قشل ا رن کی مروف ہہ این عون ۔(ق "لاحات تع )اور اشد لمات“ 
فاری) از عبدرالی ترت ہی ۔ © الخ "از موا نام وو رن کا دلو ۔ ا ”م ما5 الغا "ا رلسیر اش رمان 
مپارکری۔ © ”وزیی اة شرح وة “وزی ع رای کا الین ق شعلا ری ا e‏ “ازس اریہ 
ٴ جوب عالم ا ھآبادئی۔ ® مظاہ رشن" (اردو) ازعلامہ واب تج رقطب از ری خال د ہوک _() رج لوح“ ہر ول )مو لا 
کرام ت کی چو مور س 
ْ ماح شوہ و لیب تیزییکا سال وفا تین سے معلوم نہ ہوک تام 0 “0 
۱ وگ پروزجد ماو رعشا ے ۳ےھ اک کنا بکی لیف سے فرشت ہوئی_ ازا ا کے بعد یمیا سا لآ پکی وتات ہوک ہوگی۔ 
شرت نےدزد سال ونت رض صروت ھا پک ےپ ات ہل ۔ 


متلا ۰- ۳ ٣‏ ۸ : جو کل طلر اتل 


.ا حدیث 


و شش ادا کاپ درد الا ریت ترو :ا ار rar‏ 
اا لگ ا ا ا اص بن لم رئ ابا الچداؤر UN‏ امام ا اج اا رار :ما٣‏ دار و امام 7 ٢مم‏ 
رگن اہن معاد یں ان کے علادہ امام ووی ار ناماس جوز کک ربئاس ارت مس ۶ت چے۔ ان تنا ہعیش ہے اال حضرطور 
گ4 6 
مرانک إل شوج a‏ قل یوی علق اک ریہ حضرت امام رط سے کیل ے اود ال کے 
دہ الاقم ست جس ١‏ نکاام شا ہیس ے لین امہ وین او کیزن عظام کے دک شی کاو کی سلسلہ ہمارے تر رک ایا وقت ل 
ا ںہو کا چب کیک ری (مام ایی ہار الد 9 ,00 ) 

. ا گی شال لرایاے۔ 


لام 0-0 


ام بار 11 لام بن ,نیل ہن ارا ای بن مجن بر دزی سے اوہ پاشتکافف روات ۳ا ی٦ا‏ سوال 1۹۴م تعر کے 
روز ود اد یھر پیر ےآ پ ”ی قوم سے مشبو شی کک ہآ کے پردادا می ب رک کے تہ پر اعلام ل رولت سے مشرف 
ہرئے تھ ووی وم یس سے تھے اور ا ن کا نام یمان ی تھا یمان کی اس زا نیش فا راک سردار تھے اس ے چوک گی ان کے قر 
ان لات تھا ابچ یی قو مکی طرف اپنا انتما بکرتاجھا اک لے محضرت امام جنار کی ی ہو رمو کے 

تحت امام ہذارگی کی جیا کین بی شس مان ری 1 یی سے ا نکی واندہ تیادہ نین دوریرینان کر یح اک دان ای 
الت زان وال مس ان گیا درد نے خضرت ابا کی ای یلا ونوا ب میس و ھا اکم فرمارے ہیں“ وکیا ہہ خد اترک آدوزا رق اور 
ٰ 7 وکا بی رت مکی وروگ دعاقبول وای سی تی رے ین کی نالی وا ب کروئی ال نکی الد ٹیس تو ا نک نے لاڈ ےی آکھیں . 
رو ن UE‏ مرش ج بک ہآ پاب مس ٹر ھت ےا ناوئٹ سے ہہ یت شاک جہاں حدریث کےا ے فوڈیاہکر ۔ 
چناج اک و قت سے انہوں نے مرنشں پا وکر شرو کروی یں ۔ 

جن پ کب ی م سے فارغ ہوئے تو معلوم ہواکہ بفار اش ایک رث اور عا )دا ا سد شیرت رت یں:اام فار ال 
اک جانے کے ا ایاپ جوعدیش ت کن ںی اورٹس شمر ہو یں لوگوں کے سا سے اکر ے 
ےک دن را لوگوں کے ذرمیان ی اعادیث رسو اللہ E‏ ار ے ےاور ص یکا یا نکر ےے وقت جب انہوں نے سند 
شرو یت وکہا: سفیان عن ابی الزبیر عن ابراهیم فوڑا ابام جنار نے ٹوکا اورک الازیی ابام ے روات کک رے۔ ) 
ا ال لور کہ کی بات سے بے کک و یس نہ گے ھر کم یں کے او راب اھا کر لا کے او ہکس اکا کے ی رن 
اب اہی ست رکس طرح چ ؟ ١م‏ ارک ےک اک الا یط سفیان عن ابی الزبیرغن عدی‌عن ابراهیم و 
لتاب کی او کر اک وا کے سند اکاط رت ہے۔اسل وقت ضر الما بتار کی عصرصر فمیارہ برک کیب را 
یا ترت کا ایا س یک یہ ول کی اڑوک قر کاڈ تا ود فو بہت ہوئے اور ام ارت ۱ 
بت ل 


ملا" ٹ ہرگ ۱ ) ۳9 ) ۰ جلو اڌل 
مور بک محر این ما رک اود ےک اہ کرای ور الاو سے ا بح کے مر 8 کے ےک کر 
ْ [٤ھ‏ ۔ ری سے راغت کے بعد والدہ اور ہا لووا یں ںآ سکیا نآب حصول رہہ کے ساد می چا زٹھہ یج :ارو ري ` 
رآ پ ےکا و ں میں ا ایں۔ جب جیپ نے اک ماب ای ا تع کے م کارا مول ادرواقعات 
اور الع کےا رالو ارال نعل فی سکانا م کاپ انار رھ آپ نے ای اکا سور یا رار ا یرہ مورو شش 
یکرم یھ کے روضے میا ارک کے قریب پات رف راتول شل ما کیا | ۱ 
مایب اکل چوا سے ژمانہ کے ریا رجت ر ت کے ا کاپان ےک کی زان ٹل امام بغار مر لک لئے 
اے از کےا پا جا اکر نے جس اك کے سا تھ راک رتا تیا ا ا کار خو را کے واس مرا اء روات ت یں ر کھت تھے 
ےا سے گار تم حدیٹ حاص لک نے کے لے ا ماجناکے پا ا وقت زو وشوا ے چا ے ہو ن تم دوات ات پاک 
یس ولوا ےکا اکلہ جب کیک میں یں ٹکو ےر ںار نی ہوں لر دار مزتول ویاو رسای ت ولوان 17 
IPR )‏ اا نے ےک یاک سی و ع ےی کے . 
یں سب ہے پان اداو ر یرای ی مول ریو ںککامی کے من ٹیس جح نے اکس رہپ دە زار" 
دی لیے فی یں با ری نے وہ سب رشن ایے ما فغ میں نی شروک عادین ل کے میں : ہو آوے چاچ تاک ایا 
بار ET‏ اماد انار یلال مو مد ازال 2 کیو حدہی النکے ما اور 
. رواشت وس اورو شور پڑا ار مدشن لخر IR NOT‏ اما جار را 
ےک موک یھت ےک میس اوقت شا کر رماہوں او زخواہ راہ اتی کارت تک رتاہوں۔ ایی ل کے ہیں کہ تھے رادان ین ہر 
٣‏ تا نباد اددہافقیلت ہے ای بابر یکو ت نی کر کا 
. پناک شرف جو امام ینار کا سب سے بڑا کار اد کاب ار ران شرف کے پور سب سے زیا رہ تاب ال ۱ 
کےا ٥لک‏ ل ب.- ہا نکیا جا ا ےکہ ا ای دن امام اروا ا سار 7 ن راک یی ا سے ہو ے_ 
نراو کے شاکردوں نے لی ش کہ اک الا تول یکو ایی ای کارب تی یکر ےکی قزق در ےجس م تقر ) 
EN ۱‏ یس سم کرد یی ہول اورم بیس اپار ا تی تو اخا کے١‏ کی در جک ہر ۶ب- سی سے ارچ وک ا تام, 
۱ افر مع و مت رو شا 7ھ رما ا او کی شی وو ینک کے ول اوہ الک رسلاے۔اور انام 
گل ک رسلا ے۔ نڑا ےکک میٹ کے بارش می ما ریش ہے لو کک طرورت یل ہک کہ ہے ص ریف نا ے اضمیف؟ ۱ 

ر سب اوک عل کے ین یار سول ناک چ نی اورا ر مات اور اوکرنے 1 
اراد اور او ریا کی میں 2 ی 
ال رق تآ ی کل فرظ انار یتامرای نیہ یکی یداو پر ہن سے ان اماو ربز سز 

ےا در ھک شیپ نے پاب کیا اور جو اعادیثآپ کے مار کت م رکیانہ اٹ ری ا کو رک کر و یادا ی رح 
ا کک ںام فارگ کے سا کیو ںکی می خوا کا یی چا با یی“ ا POO‏ ) 

صرت امام غار اک ا کنا بک تالیف کے وقت یہ مول تھا اک ہاب بل لکرتے پھردد رد ت قل ہے چ رک کے بعد 
ااا ل اس طرحع بقار ی شرف مسا یکوئی مر شس سے ج یک لکرنے سے ب ام جار کلک 
ود رازہ مرل را کی ت می آپ اگ تیف ے قد ہوئے اپا رک زیا سے بره 
نے ول رپ سے مرش کرنےاشرف اید 


٣‏ مطامرن ہد +0 ) ٰ ہن اذل 


۱ ان مان شی جار اکا عا الد انا پھر زی ھا ۱ ٥‏ سے i‏ ا یا کیا خا 07 سے ےکر ریف لاگ مہ سے 
لڑاوں 70977 یف شلاتاب لار د مین ماک ریس اام جنار E‏ ہے ا 
مث ہے کے فلاف کتاہوں ارت ا ا ار ایا شون ہے تو سے لرکو ںکومیری میں ۱ 
بی اکردجانہ وہ وو رو کی طرح وہل ب کر مد ہی کادرل اش( کرای م قارا کے لے ام ارک کے جواب تازیاشہ ےگ نیل 

ھا تاج کی ن ےکہلا ییا کے میس اع پ> تار ہذں کان ے یال ر ےک نس وقت میرے لڑ ےپ کے پ ای عارہوں اس وق ت کو 
ا ای د ت کے بل درواڑہ سر باقاعرہ نتر ی کا پر م کے وہ وو عرو کو ا وقت د ری ںآ ےے مر ففکے۔ ہے مات 
) ہے لے پا ناقائل برداشت کہ ج جس یس میرےلڑکے ہوں :ای اس میس عواماوردو سر کم ضیثیت لوک اکر ان کے 
) زا ھی تج نام ار نے عاکم ےکور کی نے شرط ان سے اا رکرو اورے ڈرایاکہ یم چ رپ یا میرات ہے اس می 
ورک شت برابرکی شریک ہے ١‏ کو اص لکرنے مس f‏ اہ کول بر ترک ل یں ہے عکم کارا امام ارک کے جو اب پا ا 
ھل ہوا اور یں نے بن ےک ریا جس طح یہو جس خوسر“ ال مکومزدچکھاک رچھوڑنانے۔- . 

ا خلا لی زاد کی ین ری سے ووت د داور کر رت ام کرنے کے لے نے ےک رست وقت کے ات پا 
رۓ اس اوھ کا سے اتی قاترو اور قیال ارک غاطرنہ صرف ےک ا نہیں ع مک وعکوم تک ڈنل چ رکٹ نیک د پت ہیں کا ٰ 
ری متقصبدم ک اما کے لے دو سے علا نکیا لی اھا کے سے کی ور یں کر ےکی مال امام جار کے سیا جح کیا ہوا ۱ 
7 سے علیاء جوظام اام کے ر کاراو زمرو ے ن روا رووا تک کاپ سب 9 ار اور ال اوس وار لے 
) ات سا نےکر امام جار فك لم ول رن و اشرو کاود انام جار کے سلک اور جتہاد تید کے تار ال -۔ 
تی علاءکی ید سے ایی قرست الام ار کک 2ں کیبتاء بے اجار کوچفاراے پر دیگیا۔ ٠...‏ 

امام ہفارکی جس و تت شہرے ہاو ر سے ٹج ےتوپ نے صرف ا تافبایاککہ ”داوندا یہ محال ترے سر ر0 
ایک ینہ بھی یں زرا تھا اہ دیسروار خالد جن اج یہ وقت ےم سے معزد لکر وکیا ان مر فیک خلیف ہک اکا و 

ٰ گر سوا رگر کے ترام شر ١و سک ون کرو چنا نیہ ا لکا انا می وا‎ ١ 
ای 271 عالم ریت اورک تو لیا ان جخاری کے فلاف راز ا ای ارت ر 87 اک اور‎ 1 
وور گا سای یں شیک ت اکا امیا گیا ہہ ہوک تدا نھان سے ہے گل آقت دا ا کو گرفت مین سے نیا اور‎ ` 
) ا۴ا چا رے۔‎ 
خر سے لگ لکر شا یآ پک فور اور اتا نے اہ رک موک یا ۳ ا لے شای ری‎ lie .امام‎ 
چون با اد رآ رکا رآپ نے کرت ے ب رکوس کے ا صل پر ا اک گائوں رک میس انقامت اختا ری اک جآ پ کا ہا چان حیات کی‎ ۲. 
- رز کیا اوررمخیا نکی ترک تار مر ارات ۲۵ے شش رما لآپوا سل یہو سے االو انا الیەراجعون‎ | 
.9ت آس کےا م تد تدرا رر بے او رلا زی خصوصیت کے ساتھ این را ہی" ینم تی ای کل‎ 
ٴ اور ھی بی ناشن رہم ال تال م۸ مین کے اسماء زر جات ہیں‎ 
۱ 822 خطیب الور زار کے ای مئر کے جوا سے کید ال واھ ر راو ی کا ہے ٹول ا یر ہے‎ ) 
راک ہآپ اط ا ےا حاب اک جماعت کے بات کی کے۱ تار کے ہیں۔ شرانے سلام عرش سکیا ۔آنحضرت کا ہے‎ 
١ جواب وی 07 ا تکیایارسول الا آ ت پپا لس کے اھر کے ن؟1 کشر 8 ےار شاو قایالہ مھ ین اگل‎ 
کا ا پا یت بدا لوا حد یت لاہ چھ حر کے بود ا رسال مت و معلوم ہوا‎ 


مار بر ۱ ۵۱ ۱ قلداول ٰ 


کک یوقت امم جار کال ااج ہک 2 شا وتوا ب میں اام جار "0 ھا۔ 


نضرت رج دا دباو ےا ت یا فوا بک وگوس کاچ 7 رت+ام ڈراگ لگا توان ٠‏ 


: کی سے مکی کی شرا یدورو خوشوویہنتعرضہ تک تر مار کی ےاآّاری۔ ۰ 
بہت سے حعحضرات نے خواب میں اکٹ یک ریم ا نے جنا ری شرب فکواپٹی جاب مضو ب فرمایا ہے چنا چ مجنا ات مروز 


ایک رو ژ رک اور مقام ابر تی کے ر رمان سورہے تھے خواب میں یرم پل کو دی اک یار ے ہیں" اے الو زا تاب شا نت یکا 
. رر ل ھ7 تز یری کا بگادر یں میں دا" ڈرے اور فص را پاک ارول اللہ اش آپ پر ھا ان1 آ پک الو نکیا 


کاب سک کی کاورں کے دنا پاچ آحضرت ۵8 نے رشاو فرلا ان رین ایل اش ارک شرف ”ام الین سے ۱ 


کی اک مکاخوا باق سکیاجا لے 


ام بتار کی تصلیفا تگئی ہیں ان شش سب سے رر و رٹیل اق ر تیب یچ ارک شریف جج سکوقام سے سم 
رت ودام ل ہے دوس تاب الارن سے ۔ خی تاب لاد ےو سیت بی بہت اآتا: اش ٥۷‏ ٰ 


ناریا کی تصنی فک بون یں جوآپ کے شل کشا ار ہیں۔ ) 


ا رمد اماي 


آپکا ڑگر ملین اج ہے اورکنیف ال وشن ے تی قوم ے یا دشا رکاش نآ پ لاا مل بدا 


ہووئے۔آپ پ بی کیل التر تر ت ے اور حدی کے ام صلی کے جاتے تل لوا رای تر کاود ارک ی ہے 


کک ای نازشاگردوں یں کا ائہو حا را یا نے امام لم کو انال کے بح رواب ٹیل دمکچھا اور ان سے ال کے عاللات دریا فت ے1 ام لم 
i‏ اک اللہ تیا ےےل وکرم سے واژر چگ پت کے درواز ے کول دیوجت کی و ل بے 
ٰ لے وف یں جہاں حا باہو رجناہوں۔ 1 

ویز زان مس وات کے بد کی مت کاب ش وکھا ور چا ریخا تکس چوک تال 


1 اون ا اے با 2 یچ اوراقی نے رھ سے ا ےآ ےکزرتے ہو او لیے ہو ےکا اکا ي کی وج سے یہ تا خرف 


کے اترام کے 


کیا بار ا کھا ھک تی رن کی کا می اک سیک اردان ےہ٣‏ ال ا 


درا کیا ا را وٹ وه مریگ ا باد ن وال ےا ٹم ھک مکان یں شرپ ب لائے۔ الور ا ورو ں کا ئچھرکر ا ےی 
مرک لیا او رو رث جا کی کر نے ےا لیا ہی ےآپ 7 اف چو کیا سے رد اور ھر یٹ ما رو اکمرئے رہ ےآ ر ارو رتف 4 ۱ 
.لین اس بث یس پورا لوک مچوروں پان کر کے ۔ ملا حدیث ‏ اتا مق ہو ےہا یکانگیادحعا اد راک اکور یکہاں ۔ 


۰ مم ہوںکی۔ رکا رآپ کے تقال کاکی سب ہوا۔ الچ ۲ رجب ۳ل بر ار دارفال کوک سن اود کی 
: ہیۓ اناللەواناالیەراجعو 


u‏ کاس سے | ور یمرن جا پا 7+ e‏ الف AI‏ گی 


۱ سے علاوہبھی:آ پکی تعففات بہت زیاوہ ڑں شا صن کیو جن کی ہتناب ال کاب دوام ین اتاب تی ام نس لہا 


راد وحد :ناب طبقات خرن »کاب الاسماء وا :تاپ الوحدائن :تاب ریش دیاش غ باک اب ْ 


ٗی :یش پوپ ےد کا 


متا رت بر ۰ : ےا اد E‏ ۱ رہ هلر ال 


ىد 


2 ری الک ہے۔ لم نب ائی طرع ہے الک من ای بن ماک بن الوعا ھن مام رج مارت ہن ھان ےل 
رپ کے پردادا العا کور سول ال ا 1 گب ت اض زفف جا اص تیان رث" ہے زی اکا ںا کے بارے میں زار 
4 کیا ےک ل سے کیل ستول نی پلک الام حا کر اتات کر ان کید اکل حشرت ا زا ہوا 

گی۔ 


یمام کے لڑ کے مالک انی ہیں۔چا: چ جرت مان بوردگر صحابہ سے نکی تول رواش آل پل شف ابر ایم ین ٦‏ ۱ 


نے شرح مق رکیل میس انا مرک بارے می کا کہ امام ماف کے پ 0 اور یر ر کے علاوۂ تام روات میں ٍ ٠‏ ۱ 


کریم تا کے ات شیک رہے۔ صضرت امام مالک اس مم سے یں آ پک پاک ۳٠ے‏ ہوک ہے کہا جانا ےک امام ۰ 
الک دوبان بر حالت یمیس رے ہیں۔ 7 
ا عم صر یٹ کے ا ل کے مس بہت رش تھے اور ایا شش ر چا اکا تدگ کاب الاتیازظام تھا۔ روخ 3 


یس جب کم حدریت کے طل ب کا شو بہت زیادہ تھا اورگھرس اتی و سحت یں کیک ایر نایم سک ری کو مالک ا 3 


) کرک کڑیاں ٹیچ ری اود ان کے چسوں سے اجس قر ری“ عمش حضرت دوام مالک کا تار شرت جب روع تیا ور محلوق نیرا ) 
سےا کیا مرا تک رما وراصت ق موں شل اور ہدس ےکی ۔ ضرت ام موصو کا حانطہبہت تاور قوی تر 
خودفیاتے لہ چ روش ایک ع ہیاک ریت ہوں پھر زندکی بے خی عر 
بث خضرت امام الک نے مرف سر کیٹ عدی ث کاو دیاش رون اوھ انا اس ےک اام موصوف کے درل 
یث کے ابنگر ي E:‏ اك مرل ونیک اور ا ورت 6 انال ہوا_عیت تو وس دباجانے اورووران ت ا 
شا کات یتک ا آوا کم کت با کے بد ورت زا اورا ی زت رگ شس را مکار یکا ار تی جوں ی ا کے ) 
ت0 با ںکادہ اھ می کی شرمگاو پچ کر ر کیا مال میت یشان موی ۔ ای نے لا جا اک اتھ ہنا کے لیکن اکل کے وہاں سے 
وی ا ی موق رن نے ارت ر ا ارب وریا ت کی نکوکی بھی ھکیس جا کاخ رکا ایام ۱ 
کک کی قرست می لوک حاضو و کے اور سورت عال یا نکد اا اک ی زات نے تاعلات ہو ےکآ بے فرایاک چو ای 
٣‏ رال نے ایک نیک اوزہک دن عورت پر نکی ہمت ال ےجس پ یزاب خاد نوک اک کی ل ناروا اب ا کاطا چک 
چ کاک برع رست جار یک جائے۔ ) 
نا جب مر ست ےنور ی اکاک سے ارول ت إل سے کک وا وقتہ ے لک ضر لام 
سر ای یل ہو گج اور پک ےکمال و اڈنا چازوں طرف چنا ۰ 1 
ضرت امام اللہ ےاپے کے سے ایک پار ہیں یں جام مین من صر فآ ب کف رہ شا ہے کال اکتا ۱ 
رت ایام موصو کے مدیبہ یل“ ک ہسوسو سو یس 
سم جب مت مور ہو تے ےلو وہں اتنام فر لراکرتے تے۔ | 
رٹ ںآ پک ما از 25 ب" ولور کٹا رآومیوں ان ےآپ سے ساے اورھد یت E‏ ے سپ کے 
۱ مس اریہ کل نج ںآ ہہ 


ا ہر ) FF‏ ْ ۱ عر اڈل 
ا( شالق رد اش علیہ 


آپک A‏ اور نیت ال وعبداللہ ہے٠‏ شای کے ام سے شور یں TET‏ 
ال ین شان شال جن اکب کن دنک ئن مطلب بن عہدمناف الق ری بی شا کو لی کت ہی ںک ہن کے 
را کا ام طب تھاج وم بن عر ماف کے پیا تھے نا مہ وڈان جو مطلب کے میں ال نکی اواد -- صقرت انام شی سی تب 
۱ اور ام جوعبدمناف کے لڑکے اور مطلب کے جا میں ٹ یکر چا کے جد ای ہیں- اس طح یکرم کا اور حطر اام ۰ 

شای کے سل نب ماف اکر ل پاے ل ٠‏ 

شا ےج امام شا کو ال 0 کانزبانہ بایاتھا اور ال کے پاپ ماب بھی یکرم جات کڑاد 
یس چے کہ ہر ر س جن و پل کے ررمیان مع رک کار زا گرم ہوا توش )کفا کی ماب ے ام کے م روا زیی اک تھے 
ٹک بر چ کو رکو ست ول اور بے خر زک ایتا سے توان اول می رابکی تھے رع ریا کر کے را 
اورا ا کیاددات سے ببروور ہوئئے۔ ۱ 

خضرت امام شای کک ہیاک مہا رک دای ر ے متام ہوئی TO‏ 
اک ب لو گی ME.‏ ان کے وال ہیں چ رک لے جائے کے ھا آ ےک پردرشی مرل اور یہاں کے ری اوش 
آ پکانشو ونم اہوا۔ ات بر کی رآ پ نے پودا خرن بجی حف کیا ورال پر کی عم مو طا ام ان ککوی وکر با ہکلم 


٦‏ ۱ آپ نے پ ن ےلم جن خالد سے حا کی جو ازا مفتقی تھے رہ بر لک کر ںآ کو وت کے متیر رعلا اور ما سے موی 


فو یکا جازت امم ؟ تی ۔ ہیر گیل عم سے شوق میا یہ مس جس سس 
) کے حول ہیں کے ْ : 
نضرت ارام شا را نے ہا یل ابنراء مس کے شر وشاعرکیکاببت شوق ھا اورت زیادہ اشعار ون س حقوطط ہے 
نج نکوہروقت اکر تھا اک ہا یل ای دنک ہک رم کے سا شال تہائنھاخااپاک بے ایک دای :امام ساح 
س×حسیست یک راے: 
... پامحمدعلیک بالئقةود عالشعرہ 
'اے شا اس چوک اختیارک روج گی وې شع روشاع یی پچھوزں'' ۱ 
ا رع !ام ماب" فربات ہی ںکہ با ہونے سے پیل می نے ایک دن خواب میس وکھھ اک یک رم اتا سے 
ہمت ےکا لبیک ار سول ای احضور کا نے سوال راا کک تیل ے ہنی نے موق کیایار سول ا۲ اپ گی ٠‏ 
) کے قبیلہ ے ہوں حضور چ ےار شاو راا کے میرے نویل یآ اور انام نکھواو۔ بی ٹوا آحضرت ات کپ گیا اورا ہے 


ےا ام کول وی خضرت گلا نے ا بے دا پار ککالحاب دق رک میرے مت می الا او فیا اک چا ارڈ نال تل اتات 


سے نوازے۔ حضرت امام شا 7 اک خوا ہکا ایا نکر سے ہو ئے ٹیا نو کہ اک کے بح رر سے م عر اور ری 5 
ارب س" یکوئی لی و ہیں ہوی۔ ۱ ۱ 
٦.'آمام‏ ق رات می ںکیہ جب یی امام کک کاخ رمت اټ رک ل حاضرہوا ترب لے رشو اور قیاتے ے شزائشت 
کر نے کے بد سوال فا اک ہار کیا تام ے؟ مین نے غر یک اک اتام کہ ےس ال کے بعد امام الک نے ا رشادفرمایاکہ ےگ 
تر ااختیار مگ و دا سے ڈرثتے رہو او رامول ے کو کوک اہ حال شت گے شس مھ ہیں ی شان مہ کاک ے8 


ري OR ) ٠‏ ب لړال 
رخا یس امام الک کی خغزمت WEY‏ بج نیل علم میں مشقول ر مر تک بعد جب دای ہونے لا اور 
rt‏ سے وا کیا جات چا یتو امام موصو قآ رخصت کے وقت بج ےکو تحت را الہ : ۱ 
”ا ےو جوانوا و تال نے تھے ول لآو الچ ا را جب کرای وک تاک دوہی ابیان ہو کنا ل گ 
فو رکوڈہرائک نے ادروہ جاتارے_ '' 
اماک ee aa‏ بای کے کہ نے اوزلہ ) 
سے پھردوبارہ اخ راد تشریف نے کے ہا عرصہ کے بعر معر لے ع گے جو تل سم 
شان انی کاساسلہ شمرو کیا چنا آپ نے اصصول و نپ چو د ہنی یف فر ایل ادرفرز ری ہے بک می تا ایک سو 
ےراس یں وام اھ ہل سے ”تول کہہے ےک می مم نا ور اش وعام او تلو ۱ 
مھ لک کم رکا تاکر جب ایام شای اکت اتا رتو ان چو ں کان چلا 
حضرت !ام ا کے اکرو رش ر حضرت اا ےہک دا شای نے کے سے حضرت با الع ری لصيف ای :سا“ 
عار جا او راو ری لتاب کو ایک رات اور ایک دن ٹڈلیا وکر ۔ عضرت ایا مشا فا تآخررجب ۲۶ جع ےرا می مو 
اور اکیاولع سرد ماک کے کے اک الصاف شن سے ' ہے لتاب الام فاش ایی ے۔ ا ) 
تس کے کیل الور اس سز میس حشرت ما مال اور سغیانع ین کیہ اد موی ان کے علاوداو ری اسا e‏ ) 
٣‏ سے امام نموف نے حدریث کا عم ماک لکیاے۔ شاگردوں شس امام انل او سغیان ٹر الا شی کین 
ٰ کے علاوہ تار وکیا الک اسشت یراو یں کا 


اام امرب نیل رحس اللہ علیہ 


آ پک کیت الک الله اور امم رگ ”ار ےہ ململ سب نہ ہیے ہیی تن ال ادوپ یرن ابن 
حا ا سد کن رہہ کی نزار من لیکن م رتال ار e‏ ٰ 
ہے کے شل ےہ 1 سے راا ہکا ےکا رات میٹ رف مک نوا اور لیم کے ہے ے ' 
بے عدعاہدوزابد او ریوک گار ے -آ پکی عبات می خو حضو ہت ہوا تھا اداد لآ پکی پور ول اور وی طلب 
رو یل مرف E:‏ میم ن اترو نے کی 
:۰ اورشمام ود جزائ راطو ی سط راختیار قرا و ز ہرک کے ہو رعلاء ون نان سے اعاوی کی ست ر ھال قربائی۔ 
0 آپ کے اساجزو یش زی کن رون کی بن مح تلان سفیان تن یی ورام شال یجن ےآ پ ہے اعادیٹ روا یت فرال 
ام بل کے کرک لاف ونام قاری رین حوا ج شک ارہ راودا حال ین ان حر ات ےآپ ےاعادرث 
لک ہیں۔ 
سے صلی بن راو کا ر 700 نام O E‏ کی وی ہیں۔ امام 
ٰ۱ شاق ک ہار ت تیک مرانے ب اوم پ رج ری تھ ویاو رکم شا رل ےناد کد وسر ےکوی بایا۔ 
اھ جن سید دارگ فر کرت تک نے رخ چپ کی احادی کو زیادہ یا رکٹ رالا امام حم ب مل کے لاو کی 5 
دوسر ےکوی وکیا و 


کت 


ٰ اہر ہرز ۱ ۱ ) ن۵ ) ) لد ائل ‏ 


حشرت الوداؤر عا E‏ سو سس ر پل کے 
تروف ےلوک ای سی سدائے اموردین ک ےوک اواو کے اور میں ہتا۔ 
۱ رکیا جات ےکہ اام ا رشبل کرال ٹر اغصا رکا اور نٹربرس تک اتتشیاء وق وکل کے سا زن گی 07 
تی بات شان اورخشمت کے بھی می درا مکی 7تک اور کی کی سے چک قو لکیا۔ ) 

بین مو کال چ ں کے انل مض ر ےن بن یا ھر کے وا سیک چک اش رفیاں سو نطو ر میراث ےکی جانوروںل پلا ور 
اخ راو یں تن بن رارز نے ون یش ےک تیلیا ں یک ایک ہزار اشر یرتیل کی خحدمٹ میں میں اور کی اک 
U‏ روھال عرپ E‏ کی کل ر تآ کی قبول فر ے اور اپنے ای و عیا لکی ضرو بات شی مصرف فر سے 
امام اج ب مل تے اکا ر قرا راو انش سے ایک اش ری بھی تیو ل کی سک او فر اک کے ا لکی تلق ماج ت ایس ہے ا 
بہت سے واقیات غل کے کے ہیں جن سے آپ کے صر وتوکل؛ احتغزاء تقو اود پر یہ زگا رکا کا اندازہ ہوا یے- آ پک پیدائش 
مارک ۹۳ میس بفداد میں بول ۔ اور ۲۴ن شل بت کے روز بر اد تی مل وما فرایا ار اکیاروز عم کے بعد دا کر ریه ۱ 


آ پک تات یش مرو کراب ' سد پت وشن ےک ای ہا یف سر مض پ ےتسر ے 
7 3 مید ت,ہگ۴)" 


ا تفر رممدالل خی 


آ پک کنیت لوی اور کرای بن سی بن زر ہج سی بی ے 
۱ ام سے ہو رڑں۔ اتا ےک رس ما کے سرت ۴ ی کی جات اور رفحت شان کا اداد مدیشک “مور و ست راب 
شیک شرف سے لکایا حا سا * نے جس کےآپ ممن ف یتر یی شریف مین کے نزدیک مز یشک ایک اورب مت ایب _ 
اورمنددجہ زی صوصیا تک ینار کان دک و رکب ی فوقی ت نے 

اڈ لآو ہک ہآ پ سے اعادو ام کر تے ہے ان راولوں کے نام ضر رک ہیں جن سے واعاریٹ !لن وھ سمل ہو جں :تا الہ 
اعاز گکی 0 مو رم ابر اور اا کے روم آئ ٣و‏ چاوے-۔ 
دو کے ہک ری کون لکر نے کے ماک ال نے ائ شیو سک ٹیس علا رف ران کے راہب" بھی لیے یں 

تیرے ےک ہرم وشن مرراوی کے احوا ل کی کے ا ںکہ یہ راوگ ضصعیف ے اور توک ہے :اق رح مر ی ق کاعا ل ییا نآ ر ے 
الال ہے ھر یش سکن ے :ادر غریب سے یار ہے رو ایت مر یت کے سے مس امام موصوف اور یکرم چ کے وریا 
نووا یدوم ےکم نہیں ادرزیاددسے نیا رل یں :چناج کی میٹ ایی سل ی صرف تن واسل یں جل ریہ 
. رذایتکرتے وقت نیک رم٤‏ ہل تک درمیان می شن دا ہوں ا کی مر ی ککوجلاٹی کت ہیں۔ 

مجن من ےکپ نے اعادیت روات رال ںان ںیہ من سر مود بن لان یکن بشار اج ین اور گرب 0 
7 وکر کے جات یں !ان کے علاودودوضرے لاء او رم فی ن چھی ہیں جن سے آپ نے اعادیی لع کی ر ۔ 

آپ کے تلا دک تر ار کیک ہے جن می سے مہ بن اعد اور حیشم جن کیب خصوعصیت کے ات شور ہیں ۔آپ ےا 
٤‏ بنا ردک شریف*تصنیف ڈراک جم بس س i‏ چاں تمعد احم گے 


a mF 


مات ر ۰ e‏ : ) 
آ پکی ایک تصنیف شرل ہوی بی ع 8ک سرت قد ادر یہ مارک یات کا ایک 
پرا پا رک ۷۹ ھ یش ول اوہہ ٣ھ‏ وصال فراید 


امام رار شال رمد 7 


ات 8 نیت الرراؤر اور آھ) مارک یمان بن اشع ین اتل بن 107 اپ علاقہ جتان کے رنے دن ےی 
ا تلل سپ نے طلب علم اور تصول عدیٹ ت کے شوق میس وکت ہے کل کر چٹ سے مان کا رکیا۔ 
عرال: اسان شا ھراو قا کے علاء وین کے ال حاضرہوئے اور اعاریٹ ک نکر ان سے روا کیا جازت لے 
ٹل القدرعاء او رن سے احادیث روا کی ہیں تیم نار الیم سلیمان بن قرب کی نین او ردام اب نال آپ 
سے روا تآ ر نے وا لے کرت ںاو رارک نا اور اج بن جم کازام خصوصیت سے رمات 
۰اا الوراؤ رکا ال ون بص ے بعد مل بند اد بھی ریف لے کے اور ہیں ایی ماب الوراڈر سیف فرالیءراں 
جو یی ہو ریب یی می سو ئل 
| ایا ور امام الو اڈ و فرہاے کے را کو کی کہ اجار یت میں نے عاء مین س نف لکی ہیں ون می ےے وہ 701 ارھ 
8 ساد یش جو کیت کے انتب ار ے سب سے کت راو ر تئر یں ا کاب می ںاور ان مس سے کی پار اعادییٹ الک ٹج 
ما اجا یٹ برای ل“ یی ین شرت کنا ںاور یں ۸۸07 ای ات 
0ڑ اتماالاعمال بالنیات۔ ۱ 
0 من حسن اصسلامالمرڈت رکامالایعیان : 
@ ایکون المؤمن مؤمناحتی رض لاحیہمای رضی لنفسة _ 
,9 ان الحلال ہین وان‌الحرام بین وبیٹھمامشعبھات۔ . 
ایک خلال کی شبارتآپ کے ہارے می ےیک اام ادا انی ٹوا ت او خہا تی منصف مزا وی بیز 
رت میں بہت یادہ ارت او را سو بی ور و ہمت“ مل اتر رم تک سے یہاں ۱ 
ك 2 ارام ک ےبد ای وتاب 7 کا پیا ۲ و رآپ ارصال ا ۲ر 


کات 


ام ضائی رمد الث رع ٠‏ 


3 ا لرا ری شحیب بن خ٦‏ جن رن سان ہے چوک ہآپ خراسان کے ایک شر رک رر 
وا نے ھبس لح زا ےم سے ور ںآ ےک پاک ۳ھ یا۵ ا٢ن‏ شل ہوگی۔ : 
نے ہی خصول ی خاط ریہ ت عم کاسغرا قافرا اور نے وت کے مشہور اور ںوس امس 
٦‏ عم عدی ٹک اد و ت سے الامال ٤ےا‏ لے سآ ب راسا 2 حر ى 7 امت و ۱ 
۴کیا ٠‏ 


اب سب ےپآ لی کاو زرل موی کے لے وہ یضرم یں حا رود یں ای وقت آ ب ر 


ختار رد bé‏ ۱ ۲ ۱ یراول 


و کی قیقبہ ین سعیدرکے بیہاں ایک برک دو من ر رالا کاب کید امنا ہلل شا امب 
ھ صا اک نکی تیف ماک !یج سے معلوم رتا ے۔ 

ہی سور TTT‏ سے Î‏ 
رھ کےآپ انات کے اک تھ چاچ اکرش آپ کے ا کا اد لورت کے ہا اک رات رار سے تھے مان ۱ 
Lales‏ ي 001 ا ۱ 

اما چب ب ات یف ETN‏ 2 بیاںے اتیک ایر ان سے سوا ل کیا ال ہآپ نو 
رکا ب ای ف کی سے اس می تام آحادے یٹ یں؟ اا موصو ف نے چوا ب وراک یں یھ ی ںاور نای امیر 
نے آپ سے درخواس تکیاکہ ان تام اماد یئل جومت نہا یت۰ا دج ہیی ہوں ان 1 آپ میرے ے اک لکر ویج 
ناپ نے ایس لہ میں مض نگ یتصنیف فرائی۔ 
۱ آ پکیوفات ڑے مقلویاد اوردرد طرق پرہوگ۔ یا ا۳آ ب کے راد شس ناک اا - حفر ا 
خلاف تتے آپ با ای کنا بے تصنیف فربائی جس می حن گی کے اوصاف وم اقب اور ان کے مہا رک احوال بیان کیے گے ے 
تنا بپکی نیف سے فر مت کے بو دآپ نے بجعہ کے روز جا دش میں وہاں کے لوکوں کے سا نے ا لا بکوٹ جج کا ار ہکا " 
مگ اس سے عو ام کے ا نک کی اعلا وس او رترت می کے ”تلق جو ما وو 21 اوک خیاالات لوگوں کے و زان ٹیس سلطنت بی 
ای ادج سے را ہو کے وو رورمو ۱ 
چائ ایک دن مم ی ما ےپ نے وکاب ھی شراک یھ قوز ید کچھ بے تھےکہ ای آادرمیان 
جع سے اشا اور سوا لکیاک ہآپ نے ا کے آوصاف وخناقب تو ا یکناب شی لک در ےکر تو جا ےک خضرت حاو س حط . 
مزا کی کے ہیں امیس 
امام سے جواب واک کے امام معاد کی لمت دفناٹ کی لی سے اور ہی ات سے انی لین ان کے ماب ۱ 
ضرت ل تا میس تی ایی یں رھک اک وکموں۔ تق حضرات کے اام نا کا جوا پ اس طرح لچ 
ام موسو ف ایا : شرت مواو کے فال و عاقب میرے نز دی کچ کی پل ٠‏ ا 

امنا کا کہنا یاک وراب افرو تد اور شع پراماں وکیا اور آپ لوٹ ۾ اد رآپکوا ظا وکو کاک انی کی 
کت اق نہ زی آخرکار ان کے خدام اٹ ھا مکان پر لائے۔ رکاپ کن یآ پ ن کہا کہ کے الوق تک نے چاگہ میرک موت ۱ 
کیا وار عیرس یل ما اس کے روست شش ہو چنا رآ پو کے نے جا کیا اور ڑل ٣۳‏ صط ر۷۳ بروزددشلیہ ھا تام رتبا روصال 
را وم کے مان ہک کے رتا طیہ۔ 


ایام اکن ماجہ رحد اٹ علیہ 


) آ پک اکنیف ال وع ہدلاو کر اک رہن نی مہہ ےآپ زوین کے سے دانلے ت چو اق وتارک کے در موان ایک شر ) 
ہے اوررق تیل سے تھے چور ہیر الولو یکی طرف سو یکی ماتا ےآ پ ن جرت کے مقتزا اور جوا ہا جاے سے اور چاق 
ریت یم کے جا ےڑں۔ امام الک کے کہ سے آپ نے می ٹک اک کیا اور اک سا سے کک کاسفرا خر 


رابا 
۔ آپ کیا کسی یی ال مرج 


مار دی ْ TT‏ ۵۸ :_ ۱ .. : ۱ ۱ می : 
صحاع سن شس شا رکا ے ا کاب ش نپ سے غلل میٹ اش ول یی کد امک عدیٹ کرک : 


وضو ٹک 2 ۰9 حرو ات ا ںکوحاح ست ل شار کس کرتے۔ ْ 
آے گے وشن توو نکی یات یں ل مت زیادہ جد سل خی 1ر2 25 و ا ین کے نز دک وہ سب موضوںا ٠‏ 


سو ٠‏ ہی ںآپ سار ۹ھ شل ہوگی اورے ار مان ے ۴ھ بروزدو شب تقال را ول۱ م 


ام زاری او الک عل 


پک i‏ کرای راہن برا لن نل سرک ادرک ہے۔ سرت نبت ہے شی سرک طرف ہہاں 
ْ آ ےرس والے ت اورداریی قیی ہک ہت نے- ) 
۱ ۱ آپ ای کیل رمث امت رادقا کے ومان جیا سے مز ےپ مکی 
نمریدداتایں‌ ایی نرعمییں ےت ٰ 
آپ کے اما مہ یں این ماج انا ٹین کی اور تو جن شرع ہیں ءآپ از کید رکال زیم ١‏ 
7 اتک ا گیل الترر میک یکن ین ھی ان پیا نس۱۸۸ کین اور وقات ۲۵۵ھ بوک مول - ۱ 
" اک بن اھ ین خلیفہ سے قول س کے مس صرت ہدام برای جس ٹیٹھاہداتھاکہ دی بن عبد ال دای کے 
تالک نرک ام بفارکی ن ےکم د اندود سے رچ ھکال یا اور دمرس اا ارم يہ اتا شر ھا ان کی۰ 
اس سو 9 کر شسار پر نے کے 2 


5١‏ امت 


پک کیاد مر لی مرش نف بپ موم می یل خی و رار اتل ہکلم 
کے جاتے !ین صوصنیت سے مری کی عت اور یں کے احوا لکی محر فت یس سان ےآ پک مشپورتصعنیف ”ارق “ے جن 
رکا متروست ناب یا ہآ پک خحوصیت جک ہآپ اپ تمیف جاک مد کی حرو نے ان ۱ 
کرت یں۔ 

آپ نے کی طلب عم LZ‏ سو 7 خی رای نان کوفہ مر ا ایل مر اور اعلام کے ور 
ںی تشریف نے گے جبان کے مہو رعلا ے اعاوی عا ص٥‏ یں ۱ 

۱ وار بخدا کے اک غل ہکا نام سے جس کے پاش تھا لے کم سے موی ام یرد یچک ۱ 
ہے جل روڈ کی منژ تھا ا سیل وا ری ہلا ما تھا 7 
آپ کے حلانر وش الوم لوک تال ج یری ا الاب کیک رہاط ی ي2 
۱ یسوی یر جس سس ہیآ کن 
وفات ہ زیروا برا سالا 


امام احرین کار اعا 


ت کنیٹ الک او رآ ریف اج رین کن تی ےآپ وشن تی اک اما وت شیر یجہت رکھت ہیں 


مقا رگ چرو۔ ۱ ۵۹ ۱ ۱ ×00 رال 
E TF‏ ول ریہ ۱ : 
آ پک لھنانی کی نحدادڑراروں تک گا ا وی گی ے۔ اض من روایات سے معلوم ہوک ہآپ نے سات جار رسائے ورذ 
راچ کے لف آوشوں ر ہت فرائے زلیس ےآ پکی وسحت می تج رٹنا وف لکما لکاندازہ ہو ے٠‏ آ پک غور تصانیف 
2 ص0 جیپ یں :ماب سوا اباب نابر ل افو و کراب مرف ت علوم م ریت ماب لحت وا وا بآواب؛ 
تاب فنا تی مھا بہ ساب فا ارات اب حب الایمائن او راب اظاقیات ویو 
آپک دا شی مہا رک ماوشعبان ۸١‏ ٣ھ‏ ہر اوروفات ۳۵ مسل تام رملد 


امام رز بین معادیہ رم الث علیہ 


۱ و" ٠‏ ب ب وی ے 
تھے لے ا یکی طرف نہ تک وجہ سے عبد ری کے جات ے۔ 7 
کاک ہے ےی رت یں ے۔ 


ا ( لوول رمدال لعل 


۱ آ کی نیت ا 7.- اورا ری گی بن ارف رای ےآ ب کالقب اسے سی ا سیکا نام تھا۔‎ ٣ 
اکیانسبت ےآ ب کے نادان وانے 7رائیکبلاتئے ے ”لوو تر شام ماک اس ھال کےآپ دا ھے۔‎ 
) :انت ےآ پکوڈدوی کہا اتا ہے۔‎ 

| آپ اچ دن ووش ازل مض بے شش شیش وصال فیا" 


اام این جوزکی رحد اللہ علیہ 


) چیک ا 0" 
TT‏ ) 

آپ! الي" نکیل تررم 9-01 
5 تفیرؤڑے؛ با موا عمش بے شارتاہں کے مصفف ہیں اوران ام علوم دفو مش اپ وقت ک !ام لیم کے جاتے یں یہ 
۱ اگل مل کے دی اک فصاحت واف ےڈ 7 7 
م وشوعانت مربت رآب ےا تا ی ےس شآ نے رشو میٹ څک یں اکاک ال میں 
7 یں ہیں“ ے وس میں برعت اورخلاف ت اکال پزج کان سے اوران کاروکناک یا نیزا تاب مین“ اترام شیطال“ ٤‏ ۱ 
سيان" بھی سے اورصوفیار کے مر یر شان اور ضا ا کاز یرد ست رکا اے۔ _ ۱ 
۱ اما اءٗ بن جو زی بے عد زین اور زگ تےآ پک مت وزکازت کے واقعات ے وار یئ بھری ڑی یں هآ پ زات 
ایک واقعہ سرک یتاوں میس منقول ہ ےک کن کی اور شی یں ڑا ہو ی کار کو تما اہ خضرت الوک : زیادد ال ے شی 
ضرت ا ذوت یو سی سہ ہہت رکرکیا خرف ینس 


انید وفہا لوت کہا ن ت ے ایت 


اران پر ا ا ي رو 
IE LSE‏ شش روع 
رو صاع فریار سے تھے درمیان ے ٹر ین شش اق کر اا اور نے درفت ایا گے: من‌افضل الصحابة؟ (" جن ماب مل 
تیارہ ہلت ا١ک۷‏ نے ؟)۔ ۱ 
ہت مین جو زی کا معاملہ شای ڈ جن سوال کا راک تب کیا 09-7 یس لے ین دزی نے جواب ال 
ائراڑے را اک تون کے فلاف ہوک ہف نکی لفت لاز ےدرم شیعہ ےک جواب میرے فلاف ہے اور ال سے چچ ان ۱ 
e 4‏ ےہ تاب وا ار شاو فرمایالہ: 
۱ افضل صجابة رسو ل الله الڈی بنته قى بيته- 
7 ن ای رسول ر با ں ہزرہ لیت والادہ ےک ا یک یی کے ری“ 7 
اعام این زی مرف پک رک فوڑا لے کے کے اس مم کی ر دک رل ڈڑےہوڑھر رخ ان کہ خوش وو رشن فمل 
90ت چھاکہ اس چم کا مطل ب ےک زیادہ ال وہ ے لک بی یکرم ا کر یں ۱ 
چوک خضرت الور کی وخ حضرت عا صد یرم پان ک ےھ می یں وس لے حضرت اویل یں وش ئے اکس لے ۱ 
سے یہ مطلب اف دک یاکہ زیادہ اسل وہ سے تس کےکھ ری یکر کر رک ادروک ہآ پ 8 کی صا زاوی حضرت نا 
حضرت E‏ کے کا ہیں بس س لئ حضرت ل ووا شل ہو ئے۔ ظا ٠‏ 
مالا زی کے زی ین نے ا چم میں شیائر ےکام تےکر اس سوا یکابیغاضہ جوا دا انس ے قد ویار یں کے ْ 
دا ی ىہ ق ولوار یہ پم موک اور خط راک دو ےش آ پک پیش ےا٥‏ می مل دنت 3 


3 می 
مول 


گنو اا ارط ۰ 


آپکانام نهان کے اتی کیت ے اور ”لام ہیی ا کانام ری دے۔ 
زی کک ار( ران کے روا نے تھے اور پیا کے ال ارو جب عحر بک اعدودے :20 تم خی :او ا گی 7 ۱ 
گنول نے رشن ذا ر ںکومنو رکیاتودو سرن بہت ے ے ای ایس کے سا تھ زی نے بھی اسلام قب ک ر لی ا ملام لائے کے اھر چپ 
اران a‏ اٹراد نے پ ینان و برا ہا نکیا اور و سم لاہ یں رکاوش سکھڑپ یکر نے کے توزریگی نے رت کی نت سے نرک اس 
) دش نکیا اور پناک فارل ھکر وی او قد اض کے ات کے معظہ کے لے روات ہے ہے فرب کرم اش وچا 
ات کا زی مھا او رکوق سردا را لاف 1 شت سے اس 7 عبت وجلالت کاو رو با وا تھا ۔ زوا صفرابثرت کے ر ورال وف 
ہے کہ معت پا اراوو وتوف کر کے 2 کوت ار کرک او ررر اوقات کے لئے کے تھا رت ار رست اکر ۱ 


یا ۴ 


) 070 ایک رکا باہو اش کا تم باب نے خابت ال ثات کے تخوان شاپ مدکی اتا لکر 

گے او یچک رثابت کے ہیاس *۸ مھ یس ایگ فر ند پیداہواض لکانام وال نے ”نتمان کی 7آ کے کل کر اس چ نے ال یہ کےکنیت 
٣‏ انتا ر اور ”ام کے لقب سے ور ہو _ ایام الو حسم جب الس دشیائیش شیف لے لو آتحضرت ڑا کو اک دا سے 
ترف لے گے ہے مت رسال سے تریب سے اور ارچ اک ڑا ہکرام شھی اس ونیا ے رخ ررم کک تےکر صھالی 


ار جرد ) 7 ےہ۹ 


© حضرت اس من کک او رسول اللہ جا نت ہل رین سود السار ۰ © حضرت او لامرن وا عیات 
تھے حضرت ایام کے الت می سے دو اہول حشرت 1 اور اشرت الو نیل عام سے اقات کی اور ا نکی کت کا شرف ۱ 
کلک ر کے مرج ابیت سے رازہ و کے جو اھ ارلعہ می ہآ پک امیازے۔ کک 
٠آ‏ پ نے ابرا تم ا ےگھ رز لک جب ہل ہو شیار ہو ےو دال سے تیار ت کے مشاہ م۲س لکادیا ابی سوہ سا لک ع ری 
۱ کہ وا لرکااتقال ہ وکیا اور مام تجیار یکا اروا Es‏ تہ دار ی آپ کا ر سول ا - وک کت کےبرت ز ناو رھت تھے 
ا بہت جل دکاروباری نمایاں نز کی وکا کے سا تج یڑ ےک ایک کارخانہ جیا مک میا دزن دی ڑ ےآ رام وترفہ کے ساتھ 
از .ٹیس سالک عمرکے بعد کے ہر شون اھر اورچ بک پک یکام وجار ہے ےہ رامت شوق کے مورا اور - 
١‏ یں ھی نے اقات ہی ملام نے اوچھا:میاں صا زار ےا ے یت ہو۴ ارط نے او کے اہ جب دنا 
کشک ےنیس عتاہوں۔ عام نے حب یڑا مین فراید کش یق بات کے جورخ ر7 نے ہی ںغم علا مک حرت ٹیس یا 
کرو اس تحت نے اام الوعیفہ کے رل کہا ا رکا کر سے وار ہے قام ماجروبیا نکیا ا وسیل مم کے ےکی رر مس جانے 
کارت ای الہ لے سے می مم اور اھ ی کک ول رار ن نے کرت خوش چو اور اجازت دمے دگی- امام صاحب چو ارا ۰ ٠‏ 
۱ _ گا سے مرا ا لکر کے ت٠‏ حریث ونق ہکا م مل کے اما کی جا ی شلک گے او ر کلت وو قت نے ال 
) وق کے سب سے ور اور اناو و قت حخرت مر کے عاو شا روک شی دا ش۱ کر دیا۔ ئل استادنے لاان شا کرد کے قط ری جور 
پیا کر خضو ی توج مہزو لک اور اام لوخخیف ین ےکا ل وور کک حضرت ہا کے درس می شا ل روک رف کل کم لی ٠.‏ 
اس ششقرسے زمادہ ل اام صاحب نے ا یر سمل زت ا کے اکٹ نے ا کے فقہ س کا ی ر رک اکل ر ایل ای 
جیا دی قاہلی تکامظظاہر: می روح ]کرد یا تھا ۔آب نے فق کی م کےسا بح ر یٹ ٹر نے کا اسل یں رو ایوگ آپ توب ) 
٠‏ اک ضا فک دا ہت مر یٹ یگیل کے بن نتن ہے چنا چ آ پکوفذہ کے می نکی طرف موجہ ہوئے وو زسم 
نبوت کے1 م مرک رکو رٹ اد اس کے سان ےآ پ نے زانوائے شاک ردکی ند کیا ہو۔ می نکوفہ می خصو بیت ے 
) اا کے ی 6 > کارب بنا د جار :الو اشن ی ۰ کون من رای سکلف مجن رب اب رئیم امن مھ ری ہکن امت ٤ور‏ 
موک بن ال عاش کے تام ہت مشہورہیں جن سے ابام ال وحضیف نے کم میٹ ماک کی کون کے بح دآپ بم ریش نے کے جاں ` 
ورام مد یٹ اورا ی حضرت ارہ اور ا مرا لو ن ل یرٹ حر شو کے درس یس شا ل م وکر ان کے کی محبت سے ت 
ام کر اء بضر کے مر کن یلان رولؤں ترات کے علا و ہآپ ا ۰- عیرالکریم ای او رما بن سما ےنام کک 
۱ پا جاتے ہیں کو اولع رو سے فار ہوک امام لوعت نے ران کے لے رضت سفریاندھا ای وق تآ پ کی ر۴ ٣‏ مال ک ےتک 
بل کی .بآ پک کرم کے او رحضرت عطاء بن ال ربا کے ورس میں ری ہو نے مم کیہ میں حرت خطاع جن ار با کا 
ے علق در توت ادر پور چا ا انی خصو کی م ورتا کی اپار سے اا )کو وو سو حورت کیا کے علاووکے 3 
ںاو ری حفرات ن سے صرت کی سد حاص لکن جن شی حطرت لر کا نام ہت نایال سے کک کر ہے فار موک رآپ 
سے ٹہ یی کار کیا اور جناب ر الت اب پا رکاہ یں شرف ماق ری سے بہردور ہوک رو ینہ کے علا وشیو ن کی خر مت میں 
اض رہوئے. باشو صرت اا ار اور ات کے صاجزارےححقرت ارام تعفرصادق“ کے درد ھا ی س ےآپ نے زیادہ الاب 
د می سکیا آوز خضرت الم کت بدا“ اور حضرت لان سے روایٹ ور بک کا رف اک یا عریث ہیں حضرت امام 
وی ہے نیو لرست+حوظ چاو حرا سے چارہزا رک تخرادی اکا 


اق سو ۲ ۱ ۱ ۱ بب 2 ۱ ۳ ۲ طلد اڑل 
ای ا ا و سی دوسا یھی و۸ 
مطلے ی ال ر تھالگر یت ے ےک ے شرت بے ماد ے اوردانسن فاط ی ر کی ےی الات دام ۱ 
۱ ھر وو عم یہ رہ مال سےا اہ ے ا وک ات ے ا سی مھا جک 
ٰ اذز ال !تمہ ولت ادر نفاظا عر بث لے کل جوتور اس نڈائل کہ ال نکی من ھی یں اس خصوصیت شس گر 
7 ص۷ اض" اس ہو سکم ہےتوصرف امام مالک ہیں سے سب مسن دک کاب ا کے علادہ یل جو عم یٹ سام 2 
) کی مشپور او تہایت پا ےی تیش چب علاوہ ای سے بات ساد و کہ ری ہوا ےوران ععدریت:آخار: 
رت لت او رق ان پا چڑوں کال کور رکتاہو اجر ےکا ا ران ہو نا ایک اہی یقت سے ”ی بے ات کا 
ابال ہے۔ ایی صورت مل ان قت میت 8 ی ارا کے موا اور کا ١‏ 
جافط ڈت نے ایام نم کے فی درس مسج ی نکرا مکاقو لآق لکیا ےک ”ج نے اور امام اضف نے ساتھ اتو کم حر 
اص لکیہ دہ ہی الب رے اور زپ رم کی ود ہم لن ر ہے "ام جرح وتی رہل حضرت کی بن سعیرقطان رات ہیں۔ خدا ا 
ام الوت ول ات می ١ل‏ مم کے سب سے سے مال فی جذللہ اور ال کے رسول سے وا ذ ہو سے *کی جن ابر ایم نے اعام 
ضیف کو امم ایل ز نہ بنا یاے'' الہوافھاسن شض نے تاب کے اتک باب یل امام صاح با رومیت حدی شک کت اور ا نکا 
7 اکان ا حدت من ہوا ا نکیا سج ے چندائہ عدیث کے اقل ڑل شن سے فریش شش حرج ٠ا‏ نم کرای یک 
بی اندرازہلکایا جا سیا ے۔ ۱ 
حفر امام صاحب قاری لے اوسر ے ا فل تصورن ےآ پک ترت شاقن کیا ابڑا ) 
ںآ پ نے اک غر موقو ل لر سے اکا کر ویر منھورکی طرف سے زیادہ کے جا ےآ نے اکل القد رعیدہکوقبو لکر 
یا ارچ ری تک دکنادارالقضاء سے ان ھگرسیر ھے ”ھور کے ا آ سے اور ای ے صاف صا تک دیک کے یہ کام موک 
متو اوی بات بہت وار ہوک اور اتی نے اکیاوق تآ کرت ر غات چھوادی سی چار سال آ ت قی شالہجر یہے۔ اود ال قی کے 


٠‏ وریہ میں جآ پ سے سی یس ہے سج 


قالں ا ےن 
۱ مار روب رو 0 داش م رتخا 


شام کی جرد ۱ MM‏ 0 4 طول ت0 
اصطلاحات ریت اور ا نکی لحربطات ٰ 


د کی 

ںی کرم کک کے تول تل :یرت احوال اور تقر یور ی کے ہیں 

اد ل لیے ظا یں ی رم ا کے ارشادات مہا رک اورآپ کے اقول رہہ 

سرت ی یکرم ا کے خصائل اد رعا رل ا پک گل وصور تک ایل ۱ 8 

کک عو ن حضور پل کیزن ری کے عالات وواقات۔ ٠‏ 76 ۱ 

ات تقر کت ہی ںک کی ال نے آحضرت 4 تسس ہس ہا 020 > 

٠‏ نین آپ چ نے ہتوسحالی کے ١س‏ قول وش لک ترریے رال ورد ایک تون فر اصطلاں مین ایک تقر کہا ات 
چام نڑوں کے وع راو ”جرگ ت گہاجاتا ے اد رمد یی کی تا تالو ں اہی یں روا یس موی ہی تح ملاو 
۱ ہن سے ترد یی سی ہکرام رضدا ناشم مین اوران رھ الہ تان کے تو رل او کک مر کت ں۔ ف 
۱ یا اس خو تيب اسان وای کے ہیں کی نے ایی نکی مات یع بس E‏ کیا او رائیان ) 
| یمات سای اا ی کا اظُالہواہو۔ | 

ا ای خی یت کا یت پٹ کوھالت ایان مال ے شرف لاتم می ہدا ہوا امان: کنا ا 


mM” 
ار ےکرک یں نے جات ایانس ےکر انپ رت ہے ہیں‎ 1 ۱ 
عررث اپار الفاظ کے رو چزوں :نعل ون ہے سر اتاد اور ید‎ ) 
سر اساد معن حدیث کے ململ روات ی کم پا سے رما تا کہ ی ورایت رسای دا‎ ٠ 
کرامناد ہیں۔‎ ۰ 
90 ا‎ vera میٹ کے الن الکو‎ 
حیدشا 7 اليمان قال اخبرنا شعیب قال حدثنا ابوالز نادغن الاعرجعن ابی ھریر قان‌ر سول الله صلی اللهعليه‎ 

۱ وسلم قال والذی نفسی بیدهلایؤمن احد کم حتی اکون‌احب الیەمن والدەوولدہ۔ ۱ 
ےت ای یٹ مل ”حر تا نے ال رة“ کک اسیارے ادرا کی کے اجر ےآ رود یچس تین نہیں گے۔ 

حا اسناد میٹ کان یہ مو قوی قصلو _ ا ) 
مور :ضس حدبی تک ردای تکاسلسلہ یکرم کا PTT‏ 8 


شای یکریم پگ نے سکیا کیم پا نے اس قول زل تقر را ی کوت ریہ کہا جا مر میق -- 


4 ڑا سی سو اد نے میا نکم ال 5 


" این ) ۱ ۱ ۱ طجر ال 


تیر و 


وی میٹ مھ فور غکہاجا ےگا 
ولوف :یگریت اا حراش اچ اے سی موق کے یں ظا ا طر کی کہ این 
یا سے قر اما ان بای نے اس کیا یا ا ےک باجا ےک ہے عدیث اب با پموو في“ 
۱ متطوعغ :یئ رح تی حدی شک سای راہ پت 07 تم ووچا اسے میٹ مقطو ع کت یں" 2 رات کے رر وتوف 
اور خطورغ "و لاخ" فا بای“ ا س طرع مرت ' کا ا طلا ن تو مرف نیک رم پیا اتال افعال اد دی پرہوگا اور ماد 
جال کے ول ایال او رت کو ہا جائے گا - 
روات کے اتا ےفیک ناو یں ہیں: وشل تلن حول لن 3و ہل۔ ٰ 
ری تل می اکا ہا جس کے راوشد ےئرک سے برل ورات ملک اوی چو ہا 
کے 
یرٹ کی ےا وی گر مت ایر دراو فرش متا raw‏ 
صرت نصل: ۶ ری کو کت ہیں کی سٹاو نے دویادو سے زارراوگا ایک یتام سے غرف الا تصرف مصخف خاقط ہوں۔ 3 
یرہگ ث می دعر یٹ ے * ا آل ر ے تحرف معنف ایاعر ر راو ماقا مول _ : TT‏ 
٠‏ حجدرث مرل ا یکو خ خر ےتسب کر رظ ہی ےل سید رد کرس ے ۱ 
) کے قال رسو زل اللهصلی اللدعلو الخ- | 5" ا 
) تہ اورررچہ کے اپار ے میتی ن س 
اک رکس ر 
۰ے ا مر کیہولٛے۔ 
@ شون جو او رر چک ہل ے۔ 
ْ مرك : وومر یٹ ے * یتام اوی مئ لتاب سے نےکر امد ا ہب یسب مضب مراك اورماحب ٤‏ 
ضا ہوں :ن حر تک رو ای کے وی مسفمان ال ال ہوں۔ ) 
”صاحب عداللت'' کامطلب نے ےکر وہ صاحب تقو ور ہو کوٹ نہ اوت ہو کنا e‏ 
شر ِگجروصادرہوگیاہوتوا سی ے تو ےکر ی ہو کنا سے :تنا لامکان اجا بک رتاہہو اور ان بردذام کر تاوا ہاب س : 
A‏ سی نس سر ٹس ملا ہز زی گے سر 
وس راہ سب کے نیا سے مھ کر شاب پک ریا رامت ج ہو کے اراتا رکھڑرے ج وک رانا چناد مت ۰ 
”فاح ب مت“ کی یہ ہی کہ وو ایت ہوشار ھار قوی ماف راوتا میٹ کے الفاظ بیش یاد رک کے۔اورروایت 
میت کے وقٹ ےئ ری ھول چوک اورشک وش ہک1 شرو 2 
مصف فلرماب سے لئے دک رآ آحشرت 5 کک پت راو ںا اگ اع صفات وڈ ضرراۓ ایل تو نکی 
روا تگرد صرت مم" E‏ ) ) 
اب !کر تام می راوگ مورک اچک پل گت a‏ زا یی کے ا اران 
مات سک رر شر شش رہ میک 


٠‏ مظام نس جي ) ٹ وج ۱ بلدازل 
اف یں کے | ) 

کر ن مصن نکلاب سے نےکر حطر ہللا بش رپ یع 
ارہد ادرو کٹڑت طرق سے اور کی د وگ وتوا یک روای کر دو ری کو دی تن کہا جانا ے۔ ۱ 

ي رت شحف o AE a e‏ 
صاب یرال ت پیل ہے یاصاحب طط ال ےلو ال کی رواب ککروو ریش ”ضرق کہاگ ےگی۔ 
ایی ٹیک ایم نک گی مری ٹک چا میں ہیں توا مہو زی ر ت 

ومر و عدر یک سے ؟ راء سے اا ک کا ں با ۰ء کو یں سے ردای کیک E‏ اموک | 
ہو نایا ان ے اقات بھی بھو ٹف کا صا ور ہوا گت گال مو ` 

مور وہ یرہگ ق گر سو ار جس کے روا ہرطق نان سے زراددہوں کور یری مور ای 0 
إل 
۱ 24 07 ےر زم دوضرورہوں۔ 
) غربب: ووعربث ہے * اتاو کیا جلہ صر الک نی راو ی مر 220 کون شرب رکش ہو خری بک ”فر کے اد 

' ابا اتلاف کم ری ٹک مار مین ہیں ەشاؤ کفویل کر مرو _ 
شاو وو رٹ ے * 00 سپ سو ہس ْ 
۱ کفویا: وەعررث ے بک اراو اد ٹن ہوگردہ ا ہے راو یکا عد یٹ کے غلاف ہو جوضاو 21 0 اس سکم ترہو۔ 
مر وم طرٹیش سے جک کاراوی سیف ہد او رووا راو کیک صدنیث کے فلاف ہوجو قوی راو ے- 

مروف : ۔ووعر بے * a OD‏ اود بث کے لای ت فیںنے_ 

جس د می یو سپ شس رر ےس رف ۱ 
٣‏ سب کا بیہاں وک رک ناطوالت کابابحت وگ ۷ور دوس رے ی کہ صرف ان نی اصطلاحات پر اکن اکر لیا جا کے تو ا کاب کے کے اور 
مری کی تقیق تکوجاتۓ کے لے کان ہوگانزرد و ری تام اصطلاحا ت انا بھی عوام کے لے بہت کل ہو ا ے یہاں انی 
اصطلاحا تکی امرف ر اکسا ءا اما ہے۔ ۲ 
ا سے رسفا یئن تی ایی و روز ۱ 
کو سب ےہ او سی مکی امت ول میں ھا سی ' کہاگ ہیں: نا ری ترف: ریک رف ٭الوراؤُر 
مراف نای شرف اور ای ماجہ قرش ھا سنہ یس شال ہیں۔ 

ہش حضرات جیا این ماجہ شرف کے مو طا امام مال کک وصحاح س میس شیا کے ای بتار او سل اوا تی مگ 

مکح کا مم ین ضیف تی در ےگا عادیش یں ہک ہرک ایک صاح پیاپ نے ایی کروی ے۔ 


ہطاہ را ہر ۱ aL‏ ارال 


راج شوو شرف 
HERIKA‏ ؤَنَسْتَعِْنهُوَنَسْتَففزٰہ 
٠‏ م راش یکو ماج ن 224ب یروس صعپ رخ ع رس ٣‏ 
اشر : قدا وتر قد و لک ریف اور ا سک یتوعنیف مھ کید ا سک شان کے ما سب او راان ےکی بندہ سے اراس موک ہی لے 
مصفف تاوت تیال سے بر رک طالبں س کہ ا کی زیان دیا نکد ان ماقت وقوت لے لے وذاتے ب وروگ ری ی حرف 
توعی نفک رت یزار تقاض کے شرت ال یلمیف شل ہر یں کے ار ان سے | 
مع شش اور موا کاو امار ے۔ 
ود لن شُرز رالامسات اماز 
o‏ او رھم شک برائیوں اور اپا اون ےرک پا دحا تج ہیں_* ۰ 
7 سرت a E E‏ 
1 مل جو جائے اک ر وہ بے اکال جوتاضاائے شرت صا ر ہو تے رت یں کے کلم اہ می انس ال تیان کار 
سے فلت طاعات دعباداات شل یو تام و اقحال کامردر تو ان نما چزرں سے اش ال یپا ےپ ۰ 
تر بهو للق مض دزن بُطْلِلَُقادَمَادِی له ۱ 

م یکو اللہ نے رحا راس تر وکیا کوک کے وال نی ہے۔ او رج کو ال نے لے کے ےو دی 0027 | 
وکیا نے وا کوٹ یں سے_“ ۱ 
هد انل إل لهاد كن اة وسيل وإرع ارجات كفي وھد اوْمْحَمَد عَذه ررَمزل 
الى بده طرق الإ مان قد عت ااژهَا وخب انۇارهاۇ وهن ت أَرْكَانُهَاؤَجُهِلَ مَكَانُھا۔ ۱ 
”ںوی وی اہوں کہ اھ کے سو ول مور یس 7 اتی جو جات کے ہے وسیل اور بائ ری در چات کی ضرا لیے ادر اید اہول 
کہ م( ہڈا ) ال کے بن ہے اوہ ال کے رسول ہیں شیک نکو یھ تان نے اس وقت ابا رسول با ییا جب ایا نکی راہوں کے نان 
مث کے کے زیی روشنیاں کے کی یں میا ےتارک گے تھے اور ا یکی تا وق من لخھظروں ہے ول موی تی ۔ 1ا 
نشی :خایرمان کے را ست سے مراد ایا ہکرام اور ان کے * ان وی وکا رن علاء وسلھاء یں ۔ اک کی روشتیاں کچھ چان “او ر” اس 
کے ارچ بر چان ”سے مرا دی نک ایمان ددی کی یلا کے والی دہ ام تلہمات وپرایات جو اخیا ہکرام اص ونیا نےکر 
لے تھے :فا موس کرد یی ںا نکی لمات ہراہاٹ ت کے حائل عماء و یا کار ورام راتا ج کوٹ یکنا جاع نی انان 


۲ف ور توسحارج و معاش ول ا کو ایت یں ری پال ا شی ولولو ںوی و ھا اکچ شی نکر اور اج کا 0820 
: یع وج ای و وٹ سے کک کاردادا ری ہ تھا اس مر دن بات سے زر گنادو محصبی تک کات اور چا ائد را 


ملا ری لر سک ) ۱ ےک ) جن اڑل 


| اور یکائنات انیا بر انس ور کیل یا جیا 7 ءچ ۶ت 
2 وی جو لی اسان امت ر اور ورن و امان ہے مقصو ہے۔ 
فْتقَدَصَلق اث اللو لام عَلِيِْمِنْ مََالِمِهَامَا عقاو شَفٰی من العلل فن لايد کَلِمَة الَوْحِيْدِمَنْ کَاوٌعلی شقا 
ہج سک یکر جات نے ان یی ہوئے ناو کو سوا کر اتوید اا کوشا کا اکن ےکنارے تی 
یا“ 
۵ ادا ضانی تک شر کک ب مور رہوگ یی اور تی الات 
74 وم پی جا ےک پیک رم پل کر ری سے 


را سم ت پرلگادیا۔ 


رضح سیل الهذَايَدِلِمَن اَرادَآن یَنْلکھَاؤََظْھَر رز مدآ ئدیگھ-۔ ۱ 
ولس کے لے دای تک را کو ٹکیا پچ ارد رن اور ا نت کے وا سے ٹی کن کے زان مارک رے 
چو ای کے مالک ہو ےکاقص دک رے۔*' 
رع :نی کت کے نے * سے راد یمان شیک اعمال: عبارات ور محارف میس ج ھآنخرت ر 
ہیں چ وکو اس ا کو اص لکر لبا چ وہ ا لک رولت سے مرفراز ہو ممسحسح تس عق 
) رشا موی او رجت ت کاحق زا رہواے۔ ۱ 


بف نشك بهلي لشت هيلع اضتر من تغكر أضوت بی للا ر 

کشفه- 

بعر ارا جانا چا کہ یکرم Hê‏ کے اسو کو اتا رکرنا ہی رقت مت ہو 7 2و چک اک جاۓے و 
آپ ات کسی مارک سے ظاہ رہوگ خی یش آپ کا کے ارشارانت و اعام ار دا رک ن تاکر ا اد اود 
ای کل جب یکن کلاس ےک ا یکت وو اعادیث نیو کے ہو۔ 
شرع :نم یکریم پا کی حت او رہب کے رامت رآ ا ا اس وقیت تک ر یں ے جب > بر آپ پت نی " 
پروک نہک جائے اورپ کی عاریف اورک طر کل نہ ہوا لئ کہ ج بآپ ا کے اکا مکی یروک رکآ پا 
کے ارشاوات گل د ہوک آپ چان ےی تر کو اخ ری سکیاجا ےگا توآ ھا کے رامت بر چلناکسے تعیب ہوک اور جو 
) سب 8 ا رپچ یمیس پا ےگا ا کرت نی چنا اور اسو رسو ہلت کے اتا کامظامم مال یں ہوسا 
IDL‏ کی یمات اور ای کے اجام قران گل اور انتج ب یکن کے ر سول اللہ E‏ قران اام 
وران ل جوش تع ابے اقوال و العا اورک ردار سے فال سے لے ال آ مھا اور جانا جا کے تل د رآ کرک ٹیس ا کات اجمالی 
اور اوی ریت پ ہیا کے گے ہیں اور الاجا لکاشیل اور اصو لکی تش مرا رات قداوتر کاپان یرم کا یکر گے ہیں 
اس کے فو ری ےک بے صدبی ث کا - N E‏ کیا جا کے 

وكا وكاب ضايح الى فة الاما فخي الشتفَٔ الدع محمد ال ن اين نرد لر ءالغو ی 
کت زع از جَذُاَجْمَعٌککاب ضف فِتابووا اط لِشْوَارِدِالأحَادِیْثِوَاوا؛ ابدِهًا۔ 


ا سا یر ر ۱ ۱ ا لر اقل 


EE LS‏ ورور نے وان) الوم کن الراء خو ی راڈ تیال ان کے ر رجات بلند 
بھرے )نے رلاب ہمان لیف رای یو دا ٹن نکی یی جا تاب E‏ سے 
شش اور خرس احاوی کو مم ترا اکا“ 
29 وا شار تع ہے اور الس کی میں ہما سے وال اوٹ ا بے او کے کن ضف جاور کے یں یال ان الا کواطور 
استتعارہ استعا لیا کیا ہے۔ چنا یہ شوارر سے مراد وہ اعادیث یں جو اسو لک آتالوں س یی چم ا نکنماپون تب ہر یک 
۱ ا رت ران کل ین و ےشن معلو مکنا ہک کاب می اور م سے بڑاوشوار 
تھا ویاو ہا عار یت طالب جر سی کی نظ سے ہما ہو کی ار شیر ہیں اس لے اکر شواور" کے لو ےگس کیا می بی ار“ ے 
راد داعا یش یں من کے و تور وا ب میٹ کے سے بہت بات ورن ا ب م کے کے کل ر ای لے ان 
اغارف اکر واج کے لے را ایا 
ےی ا 
اھ نی کی انی سے مام گی الست ےر ن تقر امار یکو کی اور ایاپ مسا شی سس جاب کے متا سب جو جر یٹ اوا 
مت کردا کہ یی طالب ملم صد ی گوس حدی کی حلاش س اصو ل کیک کاو شش سرگرداں ن ونا ساو لن کے و 
مال بجی میس ان ںک وآ ای ہو جائے۔ 
وَلمَاسَلكَرَ یی للَهُعَندُِر ق الا ختضار واف الا انید تكم يتقش نماو , .. 
”اورج ب صف نے( ل ریک کے رقت )اخظا دک طری کر افیا کار ناوعا روآدای ناریا 
:یں 
) تر :از سے ٣را‏ حر کے ا رکیاجااے یت 
ای حري شکور وای کیا ہے ؛ اک رح یی سے لعف کاب تگ پشنے روا ن کرنے داس ہوتے ہیں ان کے سلسل کو ”اشر 
واتار کہا جاتا سے جور مصلف مات نے ابی نالیف میں میت کرت وقتوختار سے کام کیا تھا اور صر فکفل حریثش ےگا 
ےر تت7 تا ضا ای لے ین نکی جانب سے عتر اس ہوا کک کک مرن کی حیثی کو جا ے اور 
اسک رار رف ند پ رر ویش اسک ی ے نک ہے ہے 
ٰ روش کم اک یہی ہے باقن اضیف یہت مکل ے۔ " 
ان کان هَل ول مِن الْقَاتِ کَالأسْتاد لکن لیں مافلہ و ْاۃٌكَلَْقَايِقَاسْتَْزت الله تغالى وَاسْتوْفَقَبُ مہ 
فازدُعت کل ٣‏ حديث منة في مقر َغَلَب فة كم زو لبه انون اقات الراب نون غلا بی 
غبدالله محمد ہی اشماعيل الخَارِي وا ب الْحْسَیْنِ مُسْلِم بن اجاج افَغْيرِؾ وآ عَبدِاللَهِمَالِكِ بنا نس ا 
ای رر AEA‏ أبن غبدالله خد إن نبل الشيبانى وا ینعی مُحَمّدِ 
عيشي المي وَأین اود سُليْمَان إن الأطْعث الشجشتانى أبن عَبدالرَحمِ خمد بن شعي النَسانِی 
ون ندال یز تناف هاج زوين رآ فكد الان بد لفن ارهن وا پئ الحَسَنٍ علي 
ا بی سس ےس لسن لبقي رآ لحَسَيِرَزِیْنْ بن معَاويَةْبذَرَِ وخرمروقال 
07 


گل و ۱ ٠‏ صلہ اڑل 


.سم یہ صف کا رب ٹکو خی رر کے لک رن ات ۳۶۳7۳ وہل ری کے مال یل اھ اور 
ر نی شا کے جاتے ہیں لیکن بھی ج تی بے ان ہودشان وال جر کے ورج شس ایس ہوک ۔ اہ کی کے ی اٹ ای ۱ 
سے وچا اور ای کی قو ک اط کار ہوا م سے ہرحدبی تک ٹیس باب سے ام الاو ی جھا اکا با ب می نف لکیا اور علاء وم نین نے 
یس طرح اس کو رو بی ٹکیا ای لح می نے یرم سد اور توال لاب کے ا یکو وکا شا نام ار اام الک امام 
غا ام ای نکل ام :6م اپوراد اام تسائی. الاما اچ ابام رار اام دارقطنی امام تی اا رٹ امن حاو 
یدرک ت انا او می نشین نے جس رع ای یماوس مر تک ولف کیا اتی طرع میس نے 0ص 0 
۶ و" علد کو دمر مین گی کاو سے ادیش کک نک داد 
ہے _۔ 
نر 0 ماب 9ب ب:80- 9ۃ 
٠‏ وزرا لوا ر ل کین اور نا نے اخ س ہس لے ساح لوم جب ماع یس ور حدو کا اضا کا وانہوں 
نے ات کب اترام کک رکھاکہبرحدی کی مت ر رو ری ۔ اس کے ساتھ ی کنا ب اوا کی ر شی سے حدیث ف ییاور 
طن وی اختیا رکہا جو و نکاہوں کے ن شزا امام ار » انم لم وخیرونے امار کیا تھا ای رع نی تیب ونزور کے 
ْ اب محر و جورم کی جو کوچ ی مو جور شکل یل موجورسے۔ ٣‏ 
۲ تن ابت الْحدِزِت یه م کات اَذ ت ا اللہ صلی الله عليه وسََملنهم قد رامن راغتزناعنه 3 
اور یقت یہ جکیہ جب می نے نمښ ت کر ری ان ا حادمی کی لن اھ د عق نی نکی طر فآ وکیا کی خر :7 ےا 
کک ا ا فے( اق یلمالہوں یش امن ڈگ رک ر کے موا ی سے ی دیاے۔ ٠‏ 
شرع : مہاں شی اہو سنا تاک من وناق ری سے صاحب مصاع پر اختراض کی کیا خاک اہو قل میٹ کے وقت تام مر 
کے دک رکا ام سکیا تو اب کی اوبات پروی کوک صاحب وة نے بھی مرف کال اواب کے رال کے ورک رکال جا 
ام یں کرکیہ چیا جواب معنف سے دا چک جن تمہ ومن سے یہاحاد یش لق ہوں نے خودی سز کے سلسلہ ٹیل 
اس و“ چو او رق رور کے بد اس ھرحلہ کوٹ ےگ ایا تھا اور ان خض ت کے ای تیالو یں چکگ اتاد زک رگ ر رک میں اس لئے ا نکی | 
۱ رک ر رهس رک وکا ایت ہو اب یی تام اسناوزک رکرر ےکی ضررو تو رگ 
سرد ا كت اواب کَمَاسِْدَهًا وافَفيْتآنرةفيها- _ 
وو کی توصاحب ائ نے کی ا اور اس سال میں !لن ی کے مت قد می و لیے“ 
مرج عام طرقہ ےس ہک ناب یش ملف موضووات وسرادٹ سے لی مضراشان ہوتے ہیں ا کو ان وضو جوا و ساٹ : 
ْ کے افتبار ےقاب و الوا ب سی مکردیاجاسا ہے۔ چنا لقظ ا ب'' کے ور ج وکوا ن ان مکیا جانا ے: :ل کے کت ولف 
) الاپ ہہوتے یں جوا ارچ اک بی مو ضوح ے تلق رت ہیں نین ان کے مضرشن و ماح تک نو غیت یل نگ الک ہو ے۔ 
ا ارت“ ف ا ا ےا تخا الوم صو رتیل اور ان کے اام وسا نل ہیں کے وضو 00 
ویر توب سے کل اب رلعمارۃ کا عنواا نان وا ے او رچ راس ےکی ا اف الور صو رتوں اور ان کے اکا مہ 
مسا پل مضای کوت لکر نے کے ے اواب تام کے جات ہیں یے ”اب الوضو"'باب ال اور باب انم وخیرو۔ ۲ 
سو تس فی سس سر مس مت سی ۱ 


ظا رک جدسد ) 7 ' کہ لر الي 


۱ لوو کک یلاب اور ١‏ لواب کے وا ن٥‏ کے ہیں۔ ۱ 
n‏ وفْذتُ کل باپ غالا على فصول هاما نرج الَا اح هما اكيت بهما زان الخ به 
٠‏ لیر لغاردرجهمافىالرؤاية۔ 


اور ل نے پرا کون قصلو ں مکی م کیا ےی فصل میں ان مرو ںک را کیا ے ج کون شن ہار اورم سے روایت ٠‏ 
کیا ےی ان دونوں بی ے 7 ایک نےروای تکیاے ارچ ان ھزوں شش ںی یں ننکودوسرے لول نے روات ۰ 
کیا ےن سس قعل می میرنے مرف تین کےکرپرکنھکیا ےکی کہ خی کار رج تام مان سے بے _* ٣‏ 

شرع :مارو یں فن علیہ کیا طاح ال میٹ کے لے ےج اک کی کان سے بفارئی کم رردنوں می کور کر سال ا 
۱ تاف :رش اریم تو ایک عمالي سے قول ہے او رسک دد سے سکاف سے قواس روا یکا ما کی کے ارچ 
مر ثا یہ و- 
وکرھہ ازوك غي كام بک الزن هاا مل على تی لیب بن ماج بتي 
مُحافظة على الت ريظة وان انما وزان الشاب والخلفب- 
موک e‏ د ا 
کیا اوت یلعا کے لاو کاب تین کے انال ارک اکا چ جاب کے مناسب اور لان ےکن 
آار وخ کوشا لکرتے وت شرا ئا صد ٹکو نظرر رکھالیاے۔ 


۱ وق مصاع میں روج پصلی تھی فی ن تیر نل صاحب سارو نے ھال ہے۔صاحب سا ے امار یٹ کرت وت 
تیب اختیا ری یر پیک تل مس انہوں نے سحا کی احادیٹ * ھن یھ اور ان کے نویک وہ جد یت سے جو بنا راد 
س کور ہو ووسر ی آل م ؛نہوںنے خسان اماو ت کیج نکی اصطاع شس ”جیا ”و۶ احادیت ٹیل ج نکوبقارگاہ 
سلم کے ملاو وکر تتو اور مت اوہ امہ نے روا کی ہو تی ترک اپوراد او اَی وف اماد کیہ اطا مرف 
ماخ ب مض ماع کے یہاں ہیں۔ ون رع ین اور عماء کے مہہاں یہ اصطلاح نیس پائی مال ۔ | 
حیری تمل صاحب موہ نے بڑھائی ے ہس نل میں صاحب شوو نے اا کا اترام ی سکیا س کہ میٹ مرف e‏ 
نضرت پان بین م میں بے گاب اورا ین کے ا بے اتال و افعال اور رر ری ا لش نف کی ہیس جو ہاب کے مناسب ٰ 
۱ و r‏ صل میں بھی ے الت نشم یو ا سن 00 ٰ 
الوا لا لیے یر لاعت : 
) انك إنْففذ ت حريافی باب ذل ك۶ فک یر أنقظۂ۔ ) 
ست اک کیا باب ںاو مر یٹ نہ پالی جائے و ھاجان ےکا میل ن کر رک وج ےق سکیاے۔_ ' 
تش :یار انیاہوکہ ایک مدت مساح کے ایک اب ش توموجود ہے لیکن مشکوۃ کے اک اباب مس نہیں چ تو ا لے کہ 
صاحب کو نے ودور یٹ شکیادوسرے باب یی ہون ےک وج سے مال ض۳ یی سی مم 7 ۱ 
انو جذ تاخ رە مرو گا گاعلی اخجصار اَوِمَضْمُزمًا اله مامه فع داعي اهجماه انر کو الد 
”اور ارپا تم ویک مر فک ا کش موہ اخنتما راوج سے خذ کرد گیا چیا ا بت حت اس ری ت لار کیا 


mm ا‎ 


ا 1 “HO‏ - لر اڑل 
مز فک رنا اور ماناخوائل می کے کت ے۔_ * 
تو9 E SE‏ 0۸07 
تن کا یجھھ تح ہت ایا ے جو ہاب کے ماسب ہسےتو سے وا ں شل کرو ایا او ری حضہ الا مو ماسب اب یں ےلو اسے 
0072 اک کا اس باب کے عتا سب ے اوردو سا 4 7ھ لے بی شس میس وہاں 
۱ روز ار o e‏ یوار ا ا E‏ 
۱ وولول صورلوں ٹیس ےکوٹی ورت “و .سے ولو زی یٹ ش نف یی ے ار وہاں سا حب مسا ے اخنصار سے کا اہو 
وان عرزت علي ا5ف فی الَْصْلَيِ ِن ذِکر غير شين فی الأول وذِکر جمافى الان فَاعلَم ىبغ نمی 
کتاہی الَْقع بين الصّجيكَين حبري و جَامع الأضزل اعتمذت على صجيخى الطَيَخَينِ ومشيهما- 
”اور اگمردونوں اصلوں یں اشنا ف ار سے شن غ خی نکیا عاوی تسل اول شی وت یں کی پ30 
نف کیاکی ب وتو ناچا ہ ےک یہ اقتا ف ی غل تک وج سے نیش ہوا ہے بک یہ مل نے می ریک اتاب نا انیو اوا سےا 
ٌ لوصول یں ہار حلائ وخن اور کے بع کیا سے اور اتی ساس یش بل نے بفارگی وھ کے ال موںداور لن کے ن م ا ظا ۔ 2 
ٹر :ماح ب مصاع نے توب طریقہ اتی کیااک سل اول میس ان امار ی ٹکو کیا ےجو یں بیع دا بخاریجنز سک سے ان 
کی کا ب ہیں رو ایتک کی ہی اور صل نان یں ان (عادی کح ڑے بج وش خین کک ماوہدو ر ےا سے ن کور 
یلکن قوچ س کش ب ایی کی ہ جک شل اول مس ددا عایت ج نکوصاحب مائ نے یک فر ن نہ ےکر ےہ ےئل 
کیاے صاحب مشلوہ نے ا کور و کے ات کی طرف مفسو بک ر کے ل کیا سے جیے با ب ہن وضو کل اول می یاباب فضال 
ران شس :یر 4 یل ماک احار کون پل نکی رف مفو بکیاے یس اب اق را بی لگ اب الم وفف و ٹیس آ 2 
اک ردوپ رل اد رفرق کے رو شل صاحب مضکوق کے ہی کے یری مکی اس وک ہنا یس ہوا کک میس ن ےناب 02 ۳ 
تاب جال سول نز بماری EL‏ تر ےق میس کان عرش دخ نکی *چنانیہ ا نکمالہوں یس ن ١‏ حاد تکو 
۱ یں کی طرف مضوب نی لک یاکیاسے اور وا صادب مرائ پل آمل اول مس فی نکی طرف منسو بکیا سے توم نے ان 
حازم کو لوت اں یک طرف و بکمر نے کے بجا ےا کے سس را وی ونا‌ لک یطرف سو بکریاے۔ بے می تن اجارہت 
کوصاحب مصاع سے ون کے عدادودورے زک طرف مضو بک رکے آمل تال نف کیا یا وردو مرف جج اک مور 
جں ینک طرف مو بل توم سے کو کیطرف سو بکرو وروک بھی وم ERD‏ 
) پور صا کی کے خلا ف ای کیا کہ ہو کیا کہ صاحبےمعبق ‏ ےل م ریف کے وقت ہوم ڑکیا ہو ۔ ۰ 
ون راب تَاِحْجلافاف تفس الحَدِيْث فذلك من نَشْعٌب طرق الْأحَادِیِی۔ 
اورا کر شاف کل مر یت شرآ کے آوے احاری ق کی اتا رش انا ف کا رج ےہک 

ز2 :ل صاحب سا ےی میٹ روای تک اور وی مر یٹ جب صاحب غوچ کے قل ی توروٹوں کے الفاظطا میس فرش اکل 
شی ما حب سات ل روا یت تکگ۷رددجد یت کے الفاظ بے اور ل اور صاحب خاو کیاروا تکررہ مد یت کے الفاطا دو سرے ہی تو ای 
ارہ مل صادب اوو فریاتے ںیک سے ری زرا ل سیر وں کے الا فک ہنا ر ہواے: ]نی صا دب عبات وود رو اہی تی میں خر سے 
ہے سی میس وہ لاط میں ٭ مہو نے یا ورای مد سے پہردایت کی سے اس میس یہ الفاظ ہیں ور 
چول ْ 


ا ی جرد ۱ ٴ < ۱ 8 ) ۱ لر اون 


27ب ل بخ زضی اللهُعَلۂ لاجد اقول ماوجذتٌهاه ارو 
في شب الأول أوَوجَدْس جل5فها اذا فقت عليه فأب الُضوز لی اَل إلى جتاب الشیخ رفع 
اللەقدرّة ئی انار بن حَاشَالِلَەمِنْ ذٰلِكَ۔ 
”اور ہو سکم ےک خس روای کک" نے نف کیا ہے وہ کے : “0 ۰ 
f 5‏ 1 اعت اف اس نت یہو نے خارف 7 جلو دواو تصوری سرت را اراک لبا یی طرف 
جائے؛و شی سے مز سے اس سے خد اتا لے پاکی ہے" ۱ 
نر 7 صو ل ی الول ے م۱ دوہی اور ہک RE‏ ہیں یی 017 ٹیس روا تکوصاحب مان نے لیے 
وو روات د ان کرو ا ا کرو روا سکوی ا شاف ر ے توا ل ا او ری لیت 
ری ال جاب کیا جات صاحب مان ۷۴ وی اور خطا کم گب ترا رنہ دیاجائے او رصاحب شاو ڑکا ےکہنا الم کی اور وریز ا 
e‏ ای نیت اورا AY‏ وی کا و٠‏ یس ہے یاک خاشاِلَومن ذا ذلك ے 
اسر دڑاے۔ 


۱ زجع الله راو كف على ذلك تَا عَلَْهوَازشَتفا ظ یق الراب 
|: انارت ہوا 21 ضر فو وٹ تم لوم ہو اور ھی لک سے راو تا کے_ * 
جو ن تف سکودوردانت معازم ہوجوصاحب مان نت لکی ہے اور بے یں معلوم ہو تو ا کو چا ےک وگ 
اریز ہیس اےتے معلوم مولو مادےاودمرنے کے بعد مار کاب ش1 یضاق رو ۱ 
َلَہٰالْجُھدافی یلبش بِقذر الع ۇالكاقة رقب ذلك ال خلا ف كماو جذ 
”م ےب لوتر ادر لايو تس وہ تم سکوکی فو زاشت' تک شیا اور ای و حت وطا قت کے لاال لی کی مان شی نل اورے 
اخلا ف شی نے چس اپایاو اج ینف لکرری_'' 
اع :یش یش نے!صصو لک یکا پوں می جب اہی او جس طرحعففل وکھا: کی تی کل نے ہہ ٹک وی ای یما ںوک رک ردیا:اگ رکوئی 
اعت کر کے ار صاحب مو زیادہ کرت ےت وکوئی ری کان یک ا نکووو رواش یہ میں و ای کاجواب تووصاحب 
٣‏ مو نے دے د کہ جہاں تک میرکیارسائی و ممت و طاقت گی نے اس سے ب ھک عفد لا کیہ ار ا طرف ےکن 
لوی تی +0 ۱ 
وم يەر ىالل غلبن ںہ ہے يلت جْهَُعَالازمال ٹر كاف الاضز فز 
قفن کہ ال فن ماع رضي ) ا 
تن ارت رک نے یف اخریب وغ روک م کاچ شل نے ا نکاسجب پان کر دیا ےو جن ا حادی و اسول ا مورگی جانب 
ْ ےکک شر اع تی ےکی ت کید اکرے ہوئے سے ودی چ ر ek‏ پش ےتوج کروی 
ری رح :جن صاحب سا ےش ماو یف کے دای نف کیا تک فر قرب سے اور اں ضعیف ے رشنو گرگ از 
رصیق نے موچ تی سر ہہ ۔ سش4 


مار جرد ۱ اوک ا ْ هادي 


مک کیو ںکہاکیا ھی ای ہیر سو سض ر نہیں وسر بل یں اسای 
پچھوڑ و تھا تو صاحب غوچ نے کی ا نکی اتا کرت ہوئے ان یکوئی تو ہس کی بک ایس ہی طح نع لک و الہ حش 
یو ریو کباب کے مقابات کی صاحب ملو نے گور دی ہے جہاں صاحب مضصازعنے لوت اختا کیا ے شزاس 
یں نے معن وا مکی اک فلا حدیث موضوغ ہے پل ےت جو ڑاصاحب کوچ ے اک اڑا مک نر کرتے ہوئے اکت ) 
راوج ریو شی کے حوالہ 0ص 0 
SEES : |‏ در ات ات مت اف و و 
اللهُجَِرَء ال 
| اور یھ انج ام بھی 7ئ سس ےد تی EE‏ 
وال ف ہیں ہو کا ایوہ ج شی نے چھوڑ ری ے میں اکر جس ہہ ای کے لے اٹ 
تا یں شش 7س 
OEY ۱‏ : بمشكوةالمَصايح۔ 
”اور ا ک کا بکانام یش نے سے الما رکھاے_'' 
تج :سرن ما کی پش شر ہے مج رکھا ما جڑے آگیا_ 
راب مما شاوه میس رہوگ ہے۔ ٰ 
٣‏ و اسا ل الل ارتو عة الهدَايَدُو الصيانةو تسر ماآقصدة- . 
TT‏ ریغص سس سے ا ا کے تھاہ 
۱ ۱ تصور سے حاتت اور ملا تکآسازیوں کل ارتا و۔ ” 
نيفين فی الخیرۃ وغد اعمات زخَبیع لْنسلِمین رالشات لبق اللةويعم ا کر خرن رر 
إلا بالله ال 7 الْحَکیم۔ 
ورد ارول مر اروا ہیی ریو ادر کان رہ ورت لوی کے اورا نای رے ) 
ےکن اود مکار از اور را سے :چک طاقت او شیک فکاممکرن ےکی قوت اش تال یک طرف ے> چام ور يقالب اور 
گلچوالڑے۔“ 
2-7 اگ کی 70 لوے سے کہ ا ے موالح اور ایا سے 9 نون عطاقمائے ور ال اجام سے ر 27 2 
تی دے اور نے کے بای کہ ا تال ا کاک کے فرت کش روز کش ت ے نوازے اور 8 
سے اال رشت کور راز سے کول ووے۔ 


ظا رک برع ۱ ان اک ططراول 
سا ہہ 0 ۱ پا 
ار ریف مل سید 


) ری خلری کمن کاٹ مذرکائی لوزن رہ کر ی لد رز نزو کاٹ جهرنا یئ زج 
وامراويزَۇجُهافَه جره الى اها جر الد نمي 
”حشرت ر جن خطاب سے دوایت ےکی رسول را 5 a op EE‏ وا سر 
رتب تا ے لپ ٛ ق نے الہ اود ال کے ر مول کے لئے( نیت خا لاجر تک تو ا کا ججرت اردور ر سول کے لے 
واو رس تی راع کر نے کے لے ا عورت سے کا کرنے کے لے نھر تک کیک ترت اکچ ے لے وگ جس 
کاک نے اراوہکیاے_' ار سی 


شرع : موو ریف کے ضف پر تی تہ بی 
جیا ےکم انس م حریت شریف اوا ل کے کے اتی نی کو سے فل دککرے پچ راس کے حصو ل مین نیک ہو اس عد ہگ 
کی فیالت و امیت مز نک اتا ےب ہج علا ےو اس موی تکوم فمعمکاورجہ ری سے ۔ 

تر تک مطلب یہ ےک ہن ا تھا کی قو شنو وی اور ال کی رضا کے :لے دا راگ کے ہے بشن کور یکر کے واراڈاسلا مکو ای 
وتا سے اور ہا جاک رس جائے چس اکر ج ججر کر سے وا لاس اق زیت می اع اورا کرت مرف اللہ توا کے لئے 
ےا بے گور ا کا یکل عت رار قول ہراکان اکر نیت می سکفوٹ تھے رت ا ےا کا مخ رطلب 
دٹیایا حول جادوزرہ ےآو نول دہ راب سے روم رے گا ینطاب زا وورخواپش شس کے ساتھ ر ضا ےت کی نیت مھ اکر 
ہے توکواب گا 

اک رٹ با ای داق رک طرف :شا سے ای نف یہ ایک قورت سے انارک خر سے بجر ےک رس ے7 ھا ۱ 
اس عورتکاناممأئ نی تم کی ھا ہت سے دہ نیس ہجام فی سک جا تھا جاک رت این سو سے ز دای تد ےک با 
ےا ناق عورت کے پاک شاوی کیام وا ات مین نے ای شیب قو رک اک ودنہ جر تک ےآ جائے وتب شا وگ موک 
ہے۔ چنانچہوہجرر تک کے می ایا اور اتی سے تماد کی ءا کے بعر سے وہ نس مہاج ات یس کے نام سے مشہو رہ وکیا۔ 
) اس ری می لی اشتکاف ہی جو متعد خوش می شک طرح سے وارد ہیں ںہ انما الاعمال بالنیات ے اور انما 
الاعمال بالنية اور ال اذ ”کی روک ہے بہرعال ىر اخاف سے س کا خر اود 2 س 

ریف کے سیل رولوں جلو ں کا ایک تی طالب ہے ورا کل اخمالا مرک اوی سے کیرک جا رک س کے جحل ہرک لم بش ریت کے 
رش ہوک ی جو تی یکر سے وہای ا۶ ا چاچ کیل ی نی کر ےگا تقوب سے 
ما ل ہوں کے من: 
8 اہ مارک ع کی ٹس اورب اد قی کم ےرپ فی کی شاغ می کے سے ہیں ی اھ ی مار رن بے 
لے ا بکعب جن لوق بے اکر کے ہیں۔ ححضرت الوک رش اٹہ تداق عت کے بح رآ کو د متفقہ طور ر و ورا یق ”کب کیا گیاے بثرت کے نوی مال ےم 


EPAPER‏ سی می مت 
0 پک یں میں ۱ : ۱ 


مظاہرل رر ۳ ۱ ت۵“ ) ۱ ملزبژزل 


دے وروش ہر سر ہر و یں 
توا کو کی کا لواب لے کا پان روہ اس کے سا تح تی صل یکی کی تی تککرتا ےک ا کی لوجہ اشر درا کراب ہے اکر 
۱ ان سے میرے ایک عو کی اتال کک دور وہای یتو اب کے نی تکرنے سے ا لکود ڈو اب می گے ۔ ۱ 
و ای طرح سیر ما ےک کی یی ہوک ہی اور ہر ایک کا علیہ لیر ولواب ملا ے شلا ای تنس می جانا ےتووونیت 
ل جوک فیا ایا ےک کد اش نای کے جا ںآنے اک ال تال زیر تاوا ے اورک اٹ تیا رم ہے ) 
ادگ رگم کے لے ما نکی شات ضر ورگیا ہو ہے یرایل گی 1 کا امیروارہو ں لوا اوک اواب جا ا0س ہج 

اور تی تکرے اعت کے ا ظا رکا چک فا کیا ےک ہن جمع تک تقار ر ادمات نمازیش ہے جا ت 
سے ا کال وا گل جا گا۔ 

as‏ 0 ایی نج یس 
نے اکا فک نی تک ےکرک عام ےکی ےک جب جدرٹش د انل ٢‏ وت چا کہ ااافا ےر ار 
علاء کے نز یک امتکا فک عم کم ےکم ایک اعت سے ا ن کے مہا ود اکان ربو لو لواب یں می نکیا تین 
اوسر و رو اہی نو ھ انید سر سا سرانوں کے لے ایک مت ےکی 
EES‏ گئ ہو نے جا ای ہوٹی ےر افوں اہ مسلمان :ی سے نا یلین ایا ای ر جانا ےکم رم ںآ نے وشت اور مد 
سے کت وقت سٹون د میں ڑھنا یا یار و سس سرت ے ,ےآ و ارو خول کی کے وقت ا کی ینید 
کر لٹ ےت و اک یکا بھی واب ر 

اور نی تر سے سپ نت صن وتا ے جچاں لھس وضع ضز ۱ 
ا کاراب بی ٹاک کک م یٹ شریف می ایا ےکہ جوخن یع مس رٹ سکرو و ٹا کے لے جا ہے قروو ا فی سیل اش کے 
رت کاہتا سے اول جما عت ہچ ر میں ڈی کر ہلوت قران یس مشقول ہو او رآہں میس مکی روبع تکرتے ری ںاو اس جاع تکو 
لکل ڈیا نیک کھت ہیں اور مت قراو" ری اکا ا نع ساب ہے 

یا طرح نی یکر ےک وض ہک ر کے سی ری رار 001.0007 

اور تی تر ےک می للوگوں کے اا ے آفادہ و استغادہ پل اور اروف وک یکن اھر کے موت مسر ےا ئت 

گر سے وہال لان چاو ں سے تایاور ات بر انم و رصت چنیا ےکی ۔ 

) اور تی تکرے ھا او نفک لاقرات اور اس ےگناہوں E E a‏ 
ے چوروسری ا کل ے۔ 

بل مل یک کن چک کنل کک کہ دنر یں ابا سب کل ) 
ایک اور ہہ جب تی تلواب اح ےزیاود۔ 

او یھ رمسچ تو عباو تک جگ ے اور ان امو ری اکا بھی اوت اور آرت سے ے لزا ان رقوا بتو شای سے لیکن اکر ان 
چڑوں میس بھی نیک ن کر نے مج ن علق زیت جم انید تیوک امور سے ےتوقد 0)0 ی نو اپ ملا ے۔ 
لام ٹکو عام طورو ومو لا ےگا اوہ ای کے ماھ ید یکر لے چک کم 8 ودک اپ فباقے تاس لے 
یی خوش دوگ ا ہوں.۔ 

رر وت 


خا رن بد ٦‏ کپ 3ے اى ٴ ٴ وت 
وت کرک ولف ہے سم حرش خوش ہیف ۱ ) 
٣‏ اور تی ث کر ےنم کل گم سے بے کے وکوج نی ےگ اور برا ر ان شبت 
| اہ سے پا شاوی 
اور شت کرس ےک از تو شر یز e‏ 4207 یس و تو چھوں کا ا 
کوج سے کا مکی اس بی من نین ہویںگی۔ 8 
ال 1 El‏ اب کے اور وق ضس انال پزبہ وخوائ اوردنیادی؛مور سے ےلین کرس کے اھ 
) ی مام نیک شرل ما مالاك بھی اگ اک واب کا ہوگا: وی طرح رل میں خا س تی یں ن ہے غا رواب 
رو رواےہ 
کل رت ضا خوا خ ضس گرڈ بک در ےترم رہے نیت مت 
مہا دشا اب رف نی کے ہے یی کر ےگاو ایپ شرو ر تب ہوگا۔ 


نے رت 


: مل اک ہرربت مل نئال کے بارے می تی تکرش و رک قرارد اکیاے ان سے اھان تمو رہ عراومیں پچ یکل جن اکر 
ٰ ریت میں مطلوب اور متصورہے ؟ کے از روزد لوڈ .یں انس ےل مت سے مم ریس تول کے اورنہ در کے نزدک 
تول وچ ہوں کے ملا اکرو تنس از اخ ریت کے صتا “وکوا کیک ناز ہوک اور د ناش بول ہو اور اک رد 
٣‏ یت ادا ہو اورت بیرخت کےا روہ وکاک سے معلوم ہوک خی تک ضررت او اتیل متسو ش ہو 
کول بغر تیت کے اعما ل کاو اطقبار ہوگا_ ٠‏ ۱ 
امال “زم کے مقا بے اکال ےر ورو یں یق ای بعال جن کارا مقصید نہ ہو یلیہ ا اکر ویر خرف 
ہے ییک کل وروغ رک یہ ق ت اور بات قھو دی ہوتے یس لک شردرت پگ کے لے کی درو کی ضردرت از کے 
اپ علا ٥ا‏ اخلاف ےک مآ اک سو یں ا اس و کے نزک وضو 
اسل یس نیت ضردرکی س کیک ان کے نیک یہ فرش ہے اذا اگل یاو ضوف یت کے ہوا تووم ا اعقبا نی موا ۴ 
کے نویک مل اود وو بی نیت کے مت رہوں م ےکروکہالن کے یک نیت فن ٹیس ہے کک مت او تب ہے یز وسوا 
لت رشت کیاکی آوارا ہو چا ۓگا- ۱ 
رلت ٹیل بیت سے مرا اد شرپ الی ا کات کے وک مکرے مرف کے لے کر ہے اور اس کے م اور اور 
۱ سک رضاکیطلب کے مل کرے۔ ۱ 
| نیت ےک رل سے فص کر نے کے ہیں یٹ ی مرف دل ہے دک رکال ہو ہے زان کنا شرنا س عبات ہگر 
: تز پان ےک ہاور ول می نی کی تو پات ”ترد ہوکی چنا اتاب مم ہی آاعا ےک صرف زبان س ےکک ابا ر اش ہ وکا اب 
تاپا کا شی ات کی ےت کے سے ان ےا اک ۱ 
چاچ اس شش سول یں تسس نیت کزان کہا وی لاہ سے قول ہے اورد مہہ کرام سے؛اود ا لکا 


ب د ي < ا ) اتل 


7 7 وت £ سے شا بے اور مریٹ ق ق ے اور پارو ااا کاو ای یں 

ایا“ نر ےق لکیا ےک !ضمغا ےا کرک کول ےس ںیہا ےا تن 
ھی صرف اک قد رہاب ےک لھم ای اریدصلوةکذافیسرھالی وتقلیچاھن یکاک ارت میاخہ یٹ شرف مل 
صرف ‏ ف یت کے لج مقول ے٠‏ ویر عبادات کے ثابت اور تقول 1 0200 
یہرعال فی تکابہ مقرم اور بیا کا اشا یل خش لیا :اس سل مم مت ری انیقی سےکہ جب بی صلی ارہ علیہ دم 
کاہہ عام رضوان الہ ٠>‏ اور ان کرام راد تھا سے نمانیاروزہ میں ت از پان ےکہنا ول نیل ہے ڈور بح یل خلا ای 
شاف ہوا ےک آیے شن سے تقب اورا گروہ ارہ ر عت ےآوفقہکاقاعدد تک چ بک چک شت اہر حت ہو نے می علیہ 17 
اق شی ی و 7ال ی ان 
۱ ے۔ نا چ اوی ا کی م بی دبا ین کیا اک طرحع گر تہ تب ہونے یس اھ لوف بور کردا یلو 
ے۔ 

ثرت غ بدا رث دباو سے اخ ترجمہ سلوو شس ہیاک علاہ اس ست تفن چ کہ نمی نیت کاک رکا 
خرو نہیں ہے۔ نی زحضرت و را" فزات ںکہ ین س کہا سپ کہ می کک روایت سے یہ امت نین وتاک 
۰ - ےت زا تبون " 

ت کات کی شش کیا قاع ہک شل ےک سے ہو اس سرت کات 

کت 7ۃ ک اتال کر اطاعت رسول سے اک طرح یہ بھی بکرم ا کی اطاعت اور فان وارکی ےکر جس فو لکومی 
کرم ملا rg‏ ہو اوس مکل نکیا جاوے اور جا کے کی پرددام اص رار کیا ہاو سے چ وشا رر سے نات ہیں سے ۔ 


) 02 ۽ ت ا از ادات مل مرب ہوتاہے :تام کام مس نیت کاپ وت اور ا لکاشروم رپ مواچ اگ سی ماج 
یں عباد تک تی گر ےا ا ای نی کر لے جو بارت کے لئے وسیل موی ے اور ال پر تکار رر اوتا ہے او نو اب لا 


= 


٦ 


مل کن خی تک پکرے انل علام کے ترزیک منہ کے ٣‏ 
دھونے کے وقت تی کل ای لیکن بہتری ےک شرو وضویس تھے وھو نے کے وقت تی یکر لی جا کے الہ ختہ ذونے سے ل 
کی سک واب اکل وچا ےس می اگ نیت ڈت چ مناسب تہ کہ و ورور نے کے وق سا شش نی کر ےم ٔ 
می یکنولچ وقت مم لے سلپ کے ای وق نیک ری چ ا سب اھ ودنہ اورم کول پیر 
ee‏ 

لے :نیت کے لے 0ٰ7 پاک ملانو ںک بات مقبول ریکاز عبات لو گی ہے اور 
ولو ے۔ © کک رہ رتا ہوک پار ت ور خی عبات یل فرق تامو ای لے ولوا کے اہ رکز کر تے وا لے کے 
کی ارت مفتت نیس مول © .2 س جس چڑ کر را ے ا کی یقت اوز ایت ا شاہو چنا رک خسم زی اہمیت اور ایک 
رضت ے لے کر نی تکرح ےلین ا لک نار یس ہو 1ور © وک چ مکل جر رکرے۔ کون 
۱ الام لااو ر پاد تک نے کے بد مواذ ان مرت گیا ہوا ئا سب اور عبات شال ہو جا ےگا اور !ی لوقا 702+ 
سس ٹر ےو سے ےن ہے 
مان سے کل کی وس رایت کم کڈ ْ 


مارا ہے ٰ ۸ بر اول 


اسل OTE‏ شیر ی تن وتخ رک باعل 
مخ بک چ تھے اک ری وآ ایا چا چڑو اوغا شروک سے کے رق ول یش رک اور یکر سے کان چا مل 
ت اک کیان دل میں تاز ہوگی۔ ا ) 
کے0 :ادت واج مس بی تک شی ررح ہے“ شی واج بای نکر:اضردربی سے جیے فرش کا نین یاجاتاے۔ ) 
ا‫ مل شت تل :را ری ایت ے اور نف لک نیت ےج و جاکی ے خواو مت موک موا ر :ا کی ی وو لول رار TH‏ 
سے :مضا کے روزول قواو تیت شلک کا ویاواج بک پامطقنی ت فی سکا۔ ہرحال یس روزوزمفمانچی کا ادا ہاش کتو 
کہ رقا ن کاروزہ ے اور تی ت کی ر فیا ن ی کے روز ہک ہے اس ش تو ا؛ ائے رو وم کو اشکال ہی یں ےکی ن اک رکو ی قش 
ارتا ک روہ آو ر عضا کے ہین دان رک رپا پک نیت ال نے شل روہ کیک ری اک واجب چک نزرد یروک ی تک ی کہ 
طلقا شتی یو سنوی کل کن ابی تما کت ہی ںکہ روزورمضما نک یکامانا جا کے گا اور رمضمائنکاروردادا+ہو جات گا۔ ۱ 
۱ لے رضسان کے روز ہک زی ی رات شک یکر ا ے اورک بھی روپ کک ن ضف ال ہار سے ب پل می کی یکن سے۔ 
میس د نک برطو ی ضار سے اور اتباء زوب آتآب ےہول ے لرزاشیت ون کے کل صقن مت می کر سانا ےی ۱ 
2 اورنڈ مین کے روز ےکی غیت کیرات مل اور دن نس تف ہار ے لے سس کی جا ا ے۔ کن رمان کے تضاء زر 
تاد رفاک ردزو ںکانیت مرف رات کر ن چا التارورو کی یت رن* نال رد موی 
نز رن نکی شی یی ےک کو یخس کا خاعی و نکوروزے کے لے ےی نکررے یں ا ازع 
IN‏ رکش روزد رگو ای کی ئے ابول نکرکے روز ےک ابچ دیل ورواخ بک لیا تو صورت ین ٰ 
کپلاٹیٰ ے۔ 
کی ا سی ا کے اگ رم فلا خر تھا ہ وگیا تو روزہ 
رکھوں ی اوا کي گل شل ودب چا رول رک ےکا سل ا ن ہو سر ہیں ا ۱ 
ر سل :الوک نی تک زوشگیں ہیں اک تو ےک جب کرک ررر سے کت یوقت اوا سے کی ظی تک رے دو ری لے 
کیہ ا سے مال شیل سے ڑکا کے لئ ایک ج الک اتا ےک اس یس سے کو و باہو ں کا و صورت ما لک گا ےرت 
وا سے کک نی تک رن چا سے کڈ کال و سوقت نیت شور نی ٤ے۔‏ ) 
سیل :کسی نے اک تن کو کو کا مال و کی دتنے وقت اس نے کو ی نی ت نی سکیا 0۸1۳ اکرو زی تی کر ےتوہ 
خنیت ای وت مت ہو تی ہک ال فی کے پاس ودا موجودہو او کی نے ا سے صرف کیاوونیان ارت کے اس صرف رکچ 
ہف وراک با لي وو می3 ےتوھ رید می رکوک غیت تر ہو اور زارا نیس موی۔ 
. سے صدقہ فط ۶ رن ادر تھی ین رن اتا چک رتد زق یاکافکو دا جا سنا گر ل۷ 
ریاد رست یں ے۔ ۱ ۱ 
سے : اک عماوت کے دران دو ری ص0" لیڈ دبا چ ہے 
روران! کے روزد نیت پیک رپ یہو تیت ترمو او نم ازفا لیوا 


سل ڈیا ںکاف کو کے ہیں جو جڑی (ن | ادا کے اور اسلا ریا ست کا وتارار شر ہو- ۱ 


مظاہ رک جرد ٣‏ سس" ۹ ۱ جال 


سیل کارت تل نماز وط کر رش رف مرو پڪ e Ea‏ یں ہو 7 زوس 
راز میں کل سے ١‏ 
مسملیہ ایک نیس نے فض غاز شرو ک» 0+ فی ےاود ری تآ رل ارک وس سور 
شاک ازززل ووی یک در مان نانمشد مت کی ہنا ہے چناج کے سے تاب ا شروش تہ سے 
ابای قول ے۔ . ۱ 
ضا E SESE‏ 
. فص نز رک مار وتا ے پاروزہ رکتا ے اور نیت مرف ول س ےکرتا ےآو ای رح ند ارا یں ہو ج بک ربان سے نہ جھ ےک اتی 
ما تز رک میرےصہ ہیں یا ات روز سے نذر کے بے رک یں یا ات نمازنو ںکوکھاناطانا ےہا نأ اک طرح وف کول تنس بھی 
سی کی تک تال رامش رت کرت ہے تواگر و صرف دل شس زی کر ےک سے خاں ودک رو کاو 
ولف رنہ ہوا جب کے ا ا کے 2ض قال ف روازن۔ 

باوت کے علادہ شش چرں ایی ہیں اہ انس رل ے: ی کے ہے سے افتیا ری یں ہوا اہ ان می زان ےکہنای ` 
ضروری او رکا بوا سے متا داش اور ا ات فص ای وک کو لاق رچاے اك ے تارف دل س ضی تک لیے 
کو اس ٤ت‏ فلا مک و آڑا رتا ےگرزبان سے بے س کا صرف ول م خا ق کہ تکرا ےتوس طز نہ طلاق وا ہوگی او رنہ ۱ 
خا جب کک زان سے ہے نہ کے نہ مس نے کے طلاقی دک ماش نے کے آزا کیا توا طرخع یں صرف زان س ےکک اخقپا کیا ۱ 
ناو ےگا اور تع زان سے ہنا کل ضردری ہوگا۔ 
سیل :لر کت ے کوئی زا نے تمل کے لے خریری یڑک نی فرت کے ےترک 07 
۱ سے نے کے ل تاب خر بک نا اک اط چاو را تی سوا ری کے ےے تو ان تو ںکو ہے استتعال کے ےنتا ہے اوردل 
لے کیال ے اگ ون تد ںکی تمت زیراو رمو تو ا کو روں کا آ وا اتور ت مان ملز راجب یں 
ناد 
سے کر شان کے مھ کک - اے۔ 
ووت نب تک رتاے 0,7 ال رآ رعا ن کا ہناد جوتو عراروز ہے اور رشان رگی رن ہو وروز یس ےتوروزہ کے ا 7 
: غیت درس ت نیش ہوگ ہا اکر ا سے روڈہ کے و مف مین شک وق وہای طرح خی کر ےکا رارج شما نکاون ے تقل کے روز 

۱ گیانی تکرتاہوں اور اکر رشا کادان تو روز ھک نی تکرتاہو لآو ی یت ت راورر رست بو اردور مان 
ہو !لوا یکاف نگ ارد ارام وھا ےگا- 
صا سی ام میا کاو صف اتپا ریت او رقم رکے لاف ہوا ے ہر کر سس عم 
یس شال سے ملا ءکھانا: :سوا علال الک با لا یوک ے کت ار ان امور شس جو اع رام یں ان ےکر کے کے وقت 
ارت ادخدا ایک طاعت ضا ن تکل ہا ےتیک مب چ عبات ہوا یدانب راپ ا ے لیکن اکر مان 
شش اطاعت درضائے ابا نیت کرت وھ راس رکون لواب لا و 
۱ سمل :| اک تخس انی نو ی وکا غس ضر وی یروس عام Di E‏ : 

توطلاق جا ےک اور اگرطلا کی نیت نی ںی توطلاقی وائ فیس ہو اور اکر روصت طلاقی کے الفا اداکر ربا وچ رس شس 


مظاہ رپ جرد 200 ) | ہلراآل ) 
نب تک ضرورت SE EEE AF"‏ ) 
سیل حلت جات ئآ شرف ارات کر مرف راز ے پسدر تن اتی ر ۲ 


ھناور ست کی سے پلکنہ یہ 7رام ے۔ 
مل :اگ جار ت کی نیت ا ےا ل کی ہوجو زی نکیا درا وار ے خوادودزششن ری ہوا اخ را اودیا رای کاہد ھار وتوا بے ال 
n‏ وانہے؛ 0073 ۱ 


مسل اتک تت اک انی تش کرس تا ےکک دول کے مو کے یبای ےا ے ہیا اص 3 
داو ا اور رکے ذر یئ ما کل ہواہویا ےی اک وصعیت کے سلسلہ یل ا سے a‏ واج نیش موی 
رجہ اس بے ایگ سا لکیوں ن گند جا ےکر جب وال ررضت :وگ اور ا کے عرش میں جوچ ھکل موی واو وو إصورت تر بویا 
. اھورت* س تو 1ت ایک سا لک زرجانے کے بعد رکوہ 3 واجب ہوجا ےگی۔ 
مہ :کی مکلیت میس چ ا ماقو ر یں جوسمال کا کے نگل میس جرتے ہیں اکم ان چاو روں سے اس کا متضررورویا 
ن ا ابع کرنا ےتو ١‏ ی شی جالورو ںکی زک 7 وجب ہوک اور 1 ان نے ان سے تار تک نی کیا موو اس می تھا رت ک زک 

ہوگی۔ ہیک جب اس نے ان جانورو کو تر ہیا خی تو ای وقت کی ب کی نیت تپارت 7 ان جاوروں کے 

رر ے ےو تیا 21 گی ست وا رک ییار دار ری وت و ران مرکو وی ؛ e‏ 
سیل :رکو تس نوی سے زک یں وتا ےتوزکلاۃوصو لکرنے وا کوج و دام وق تک طرف سے مقر ہے اس سے زیر دک زکاۃ 

1 ارس رر ال :کے کرای نے دی کو وصو ل کر یتو کو ارا موی کو زرل یس احا ر شرا ہے اس ا 

کو جو قور سے زل کی رجا سے اة رعو لکرئے دالا رک سیا چ الہ ووز سے پر را ہو جائے اور زل وو بور ار 
کرے_ 

مہو شی yy E‏ کے مصرف شر کر 
4 ولوکادا ہا ےلکن ای روا ں فی ف ہیں۔ ھراو رر دای ا ےک ہز دہ وصو لکرنے سے زل ارا 

یں ہوی۔ ٠‏ 
مل سر یں سے ہیر وس سض ضس 2 .3 
ای سے امد ا کی وچ وھ پا اک نے پیک کے کہا چ او رخ رک ایت شس کی ےی لے ا یکاخ میس شر 2 ) 
وا 

کال یری خلہم کیت نور سپ کر ر م م کے کرت کا تالک مک خط 
ہیس ہوا جب کک خط کی نیت کا رے۔ 

سیل :زی ق اور ر کے ری لک تیار ف کے سے شراب نا گی ہے۔ اکر ا کی نی تفگ جار تکی ہے اور ا کا مقصد 
) ای تارت سے یگیل کہ اک سے رابا جا وی تار ت کے وا کر الک تک یچک ال سے شرب ما 
EE‏ .جار ت راچد - 

اک ری اکر دی کس انکور کاو رشت لا ات ہے نے نکی تار کرو ں گآ اون سے 
اور ا روما راد رشت اس نیت سے لگا کہا سے شراب با جا ےو ۶ 


مار ل چرم ۱ ۸۱ ۸ مزاول 
اج کاک کر سرک نا ےک نیت سے ایلرک ہے ادگ شراب بنا ےکی خر سے کوک شی کل جا ےک7 د2 


r. ` 


یش کی سان ےک یا کیت :کے ال امام ہگ کو کرای 
بلا ہوٹو اگربہت عرص کی یسلا قات کر ےک وکوئی مرج سے ۱ 
4 یآ رت رن شو فا کی ری یت کے ر تع نے قزر رو شر 
ا دار کے لے چو ڑل ےآ لو را الا ال حر یں ے بک ابی ایا مخ ازب دزت نرک کے ہوئے ے 
کت 
سیل سی میت کے مرت ما یی تر ککردینا ارد ا رض اہ وال رعلی جار اتی تہ وع uy‏ یلال 
اورت جھ یا اط کل شی کک شار ما تم خت کرم ہپ رم تس ں۳۱۶ یؤں۔ . ۱ 
الت ان کے مرک فکمر نے میں اکر یت فی ہے بک کیا مر غا ریک زاب او کیان سے اتا بکیا جا توت د 
شاوی کان ٹس 17 مح ترما سے کوک ہے مت سے اور یکی جل دک ادا ہو تایا تھا ے اور اح ث لواب ے۔ 
سیل ارازگ اتا لے مس نمازجنازہ ڑھتاہول اللہ تال کے واس اور دعا ۱ کی میت کے واس ٭ چ 
مل 77 اوت ہیس ھن 727 ال فار اروت کرو ے ضور ہے ) 
) سبل :نز کی نماراما مکی اقترا ہک نیت کے لخر IA PETE‏ شش اکرو ر سی 
۱ ام کے کے اھ رپا تو ای کے لے شو رکس ےک وداا کیاکی نی تکرے ا کے ای را کی غاز یع نیس کین ام 
ٰ کے لے ا سک رورت ٹیس س ےک دہ مقر یک ابام تک نی تکرے۔ ہا اکر اماو معلوم سپ کہ ہے کو می کی میتی اق ء میس 
ما ھی سک یتو جب اس کے لے رو ری گا دہ عو رتو یباتک یتکرے۔ اکر ایام نے عو رتو ںکیااماص تکی نیت ت ایی کی و 
) ورتوک نماز یس ہوگی۔ 

سے بد اور ییک وو لم ےرا کر ام جع یدیک مازشر عوقو کی دام تک یت ۱ 
کر ےتومو تو ںیا ءورست ہے اور الع منازموجالی ے۔ ۱ 

مہہ :ایک تنس نے مھا کے ںی کی امت نمی سکرو ںکا ا نے نمازشرو کی کے سے یک نس اکر 0 ۱ 
زع اا ےو ا ےکی اب ربا سوال کاک دہ ٹوٹ ایس تو ا ک م قا تولو کی لیکن دان 
| لول ہین ای اس کی ام رٹ جانےکاگمگارے کنن تراش اس ہک اورا اکر و س نے تراز سے سے یکو ا 
ا زی رق کی یس لو ٠‏ 
اگ روڈ مکھانے وال ج ہکی راز شس لوو یکا امام نا تو نما زک ہو جا ےکن فا ءا کی مم ٹوٹ جائ ےکی زکرم سے 
جنائرو قاری ماس لی ایکا ون یی شر کچ لاوت شل یں و ےی | | 
ای جنر نے مو یکم قووں کا ام مس بنوں گا ماز ل دوسرے لوگو لیوات 
ا فیس ہوں بک دوسرے لوگو ں کا اپام ہوں لیکن اس تی نے ان کی ایس اکر اس کے اقترا ءکر یتوس مکی ام ٹوٹ جائے 
اکر جہ اک نے اقتراء ا کی لا یی شی کی ہو۔ 

کل ہے کے کے بد ری ےت ہے 


مام ران رر ٠‏ ا ٣ Ar‏ ِ2 ۱ سا ۱ 
f‏ 
تروسیسوئو ی 
الاک ملک رناہ تو اس طح ہی نیس ہوک کان ہہ تا گج ہوا ےک ےک یہاس خی ت نیس ERIK‏ 
یہاں ہی ہکیش ریا مفقود ہے اور جب شر نیس پاکی یتو بیج کوانب نر ای ار ۱ 
020 انت ات تی ربا ےک فلاں زی رے دےاورزر آ کیا اس سے لے یک یئوج ہیں مرکا غراف فاق . 
اور خان سک مات پر کی می لاق اتی ات جائے 7 ںی اک ری سے زیر دک طلا ی ہے طلا وا تی ہو جائے 
کپ 200--0 د چت ۶م کرو اگ LL‏ 
فور یں امھ یھی ری سے اس لے اس پم ٣‏ 
ڈو ال سد ا پک ری ایال وت ات ڈور دا 
سح لور ر ست سے اور اگ رپاراددقرت ترآ ن کے بت ےتوپ ورس ت میں ے۔ ۱ 
سے :اہک ری خرن ےی دکامنابآیا۔دکاندارنے اپناسامان تاپ ےکاتھان یاف ہک یورگ و پر ری یر 
ارک کور ۶ عبت تو لے کنر سے اا ٤‏ :2 ھکر جیا ابش کین کید درس ٤‏ رر و پگرووے۔ _ 
سیل :ای نیس معمو لکی خوراب سے کی زیا کا اتا ہے اکر ال زیو یکی وگ خوش لقان سےتویہ مناس ب اش ے۔ 
اکر ای سے ا لیت سیک کل روھ رو کی ائ کا تھے چک میرے ساتھ ج ہا یھ ہا ود یری کر ) 
زیاد ہکا او رک وکات ہے لوی ھت کیا ٣‏ 
سل :ایک سان و تی ھال باک ر کے کم اک ٹیا 0 مبان وکا کے رمال ے از ےرا ےت جس سے ) 
۱ گرا کا اراوومسلما نکی ےتوہ ام ہے اور کر یکا مقر ال ترک چلانے ےک وا کر نا ےت رام یچ 
سے اک ک نف سکوکوئی چزر ادد یس شی وی کی ہی روس اس چاو اکس نیت ے ااا ےک اس کے مال فکوڈ ون ڑگر ے چڑ کی کے 
بر ردول گا آ لی ھاڑے اورا 11ر کی غیت سے اٹھا اپ 1 یالکو وو کاک ا ےا ایا کو گا اوے ناجائر ہے اور 
َ‫ تس گر اٹاک را مہ اد گار ہوگا۔ ۱ 
62 تاب کات کازیت ے گی تا تو ےکردہ لیس اور رخافل کی نی یں ےت کزوےے۔ 
سمل :ایآ ایگ یس نرکا ہی کیا اکس س رآ ن ریف تھا کر دقن رفک تاک خر سے اپ ھٹھا کرو ا ہیں ے اور 
اک رام تک نیت ے ین جما او ہہ گروورے۔ ۱ : ) 
کے2 ایک ت سکھا چھوٹر رتا ہے ا کا ھا وار دردد وج سے سج یا اکا اوخوا او رکوک کی اس لے 
O‏ ودای ہپ وٹ 
اتا 


ا کم تا ا ےت لاد یں 


مظاہ ری رر ٰ ۸۳ ۳ ۱ طز اول 


ہگ سیر عفرا سے کے اواب نی وا ترک ید لاف کیہ 
سے کے توا وا بکا نہرگ ۱ ۱ 
مسل :گی چاو رک ی کی ےک یی کیا جا ےہایک ک اروگ را اتک فرش سے بوخلاق ن 
اوی وا بکاباعثٹ ہ وکا ا نوز کر ےک مردویزن ہف ینیم اور اود ےک غ س ےتوہ مرا م کہ ایک قول کے موان 
روا ) 
۲ سے مازٹش رک تک ترا اور یدو ںک تی رارک تیت رو رک اتان ہے اورنہ ال یکا تت رہوگ خلا یی خش فی ری ارتا 
ہے اوری تک تا ےک ٹیس باز امو کی جن راعت "لو کی تتا ر ابق ہو جات ےکی او رین رحس کی نی تلق ہو جا ےکی ٣‏ 
۱" مل یس ےم تو کات کم کک عم ے موم وکس ورک زی کت ددم یں چک 
وو سے تونماز یع چو جات کی ایی سکوکی مر یں ٣‏ 
) سل دای تھی نے ا مھا ادر اڑا کی غیت کہ ا ام کے چ کہ ال کا ےچ از عتاہوں کا بعد ش معلوم 

۱ اک زد ہاش ے وجب ی نازر ر ست ہوجائے 

ایر تابا سے توور سک مکو وک سا اور نیت ایاعر کیک ام کے و کہا انام زی ہے نماز ستاہوں 
) کن بد میس یلو erf‏ 021 یں سے وجب؟ نازو رست ہو ما ےگ _ 

کیش نے نی کک مناز تا ہوں چا شاب ن جوا ےکن اکا سے ہکا لو مال ضر ورست نیل ۱ 
ہوگی۔الشہ ارا س اس ہوکہ نیت نوکر ےت ن بوژ روشاب شی جوا ن ونازور ت مد جا ےکک وقلہ شا کو ھی تار 
اس کے مم اور وریز راک ا اما ے تخلاف بن کک اس کے لئے شا کالفا استعا لکمی سکیا جاما- 

مل :ایک تھ نے نالم از شرو کی ر رمیات شس ر اکاخیال رامو ونماز یک لی نی تکی مت ہوگی۔ ریا کہ اکر اہو 
اھ اور اکرلوگوں کے ساتھ وتمازڑے۔ نے 

وط ہار ھی یں رگن موک اھ تو رپ ال ۱ 

کو وکل اکا لواب لے کاپان نما کا واب دہ ےک 
سے :مر .یوما زکے بارے می شک ہوا کہ مار کیا ہے با ای ںو 17 چا او را اک رشنک وائ ہوک 
رئا ھکیس ؟ اوزوہ مات ناز شل سپ ترا یکاہ ےک رکوں ایا ہرد وور ھکر ے اور ا یک ناز ےبد ر انا وا تو 
دوپاروک ر کی تصرو رٹ ؛ 1 ۱ 
ات پا ای طر ملک ہوا اک چرم ایس را 2-0 پا وضو ہوا ےا انیس ا الہ ا ہپڑےہ تواست 07 ابا 7 
20 رم کیا ا پیش لوان سب صوتوں میں یہ وکیا چا ےکک یہ شک کان ہناگی مرج یاباربار ایبائی تک وا ارتا 
ےا کل مہ ینک دا ہوا مزا رار اور اک رکٹ بای کک تاتا ےقودو داز مزر تک رورت 


e, 


سیل ی محضییت او رگنا رش قب می خیا لآ نے کے اب در بے ہیں : 
0 ازل ماس نج ول ۱ شک ینا کے تیا لک اشر اجا ۔ 
ووم شاط ینیل می یکنا کاخیال (تصدآالنا۔ 


“'"۵٢ Af e‏ "نل رازل 


کِ E4‏ رٹ انز یت TIT‏ ا 
ا ڈیا ترو رش ی ایی جن کور ریا 
زم ی تھ ریس ) 
توغ ریت س انس, اط ہیف نشس ان تنوںل ‏ کول مواغیذہ ا ہے اور د ان کول زاب لگا ای پ رتو مواغیذہ ال 
٣‏ لے گنیس ناک ول یس خی کا ا یں بت یں ہی اران کورچ 
ازا سی کوٹ مواغزہ کیہ 
”فاگ وو دی نس چب اشنا وا انت کے لا کنا س سے ےکن ناتم اخ اتا ے اور 
بہت ے رم 1ر9 ایی بھی ویک ال ےک کناٹ ے ان رولوں موائزہ وو کردا ے۔ ۱ 
می جم ہی ذرق ہاش ہاب نک تاد ےا ے وا برای یی جاک ےیا۔اکری را کو سے دا چ تھا 
ارو ںوک کی وہ E‏ 007 کی بر واه رتاس 


علا 
کتاب الايمان ‏ 
امان کے الواب 


اال صطلب: ”ان“ کے یا ہیں ہن اک رناہ تمان ار مالع بنا اطا - یس ' مان کا مطلب موتا ے١١‏ کی 
شی 2 ر اورا اک الہ اک ےا کی کے لاو کو وو اورپروددگا رکس ۱ ی کے تام زان وصفا یکمالات بر ا ر 
رھت )الد کے اغ کی رسول اور یں ا نکی ذات صارل وسرو ے اور ےکپ کا ساب ون کی صرت ال الع رکاج 
ارد ناو شرلجت لے 1 ادا کل ےا سا ظا نیٹ و صراقت شک وشے ے پال ر 

کیل امان :زس کے دیک ”ییا“ کے تھن) اء ہیں : ”را اقب س]نی ا کی وحدانیت ٢ر‏ مول نا کی ر الت اور 
وي کیا تا یں ری ے ین رتا ازم | یی نو اخیار پیل وداک لن رہ اقرا الان“ ی اد ند اعتقا رکازبان 
سے اعظکمبار: ا حرف او را ترا کر ا "اال ورن سیر ناو ششرلجعت کے اکا م وپ ایا تک جسمائی بھا آور ی کے ور مین ال ول ند 
اتاد کا مظاہر دک را الن بول اتزاء سے یکر ابا“ 7 یل ہوٹی سے اور جو ای ایا کا ال ہوتا ا کو ڑم نو 
لان“ پاہاتاے۔ -_ : و کے ٢‏ 
اما اور الام :کیا اییان اور اسلا م لکول فرقی ہے یا ے دونوں لقت اییاں مفہو کو وو اکر کے ہیں ؟ 1س سوا ل کات لی جواب: ٠‏ 
مکی بن کا اض ے سکایہاں مو ٹیس ے۔خلاہ کے وریہ اتا ہناد تا اتی سے اہ ری ہوم ومصیراش کے اخقتبار ےکوی ) 
رولو افیا نتر یا سال مفہوم کے ے اسقعال ہو تے ہیں بین اس انار سے الناددوں کے در مان فرش ےک ”اما نے ما طور . 
7ر تحص دی نی اور احوالل ہی رار ہو ے یں ج بک ”اتلام سے اکٹ پیش را ہرک اطاعت وراتم ارک ررر جا ہے ال کول ںگی. 
کہاجاسکم ےک ” وحداتیت: رسالت او رش راج تکوہاۓ بور لی مرن“ جو ٹن یکل رل دماح سے اکم ہوناے ا کو بیان“ 
ےت کرت ہیں ور اس کی تل ق کاچ انظہارکل جار کے زر نی ای اخوال سے ہو تا ےا یکا ملم ےکی رک رتے ہیں٠‏ 
۲ من کم تول ے تمان کی جب پچھوٹ کر توارع ” اعضاء* ر مورار وچا کے آو ا ںکانام الام“ ے اور ا ملام جب رل مل 
ارجا اوا بای“ ےم سے موسوم مو جا ا ۔ جا و اہ رہ تحیقت امب مو ا ہار ے الو" ”ایا "ا جكاے 
اور ی ازرم بی لئے ایال اور الام یک دو کے کے لے لازم طزوم ہیں و ایران کے برسلا م رم وکا او رنہ اعلام کے 
لی یبا نکی ایل موہ ما لااو شش جوں وق تل ناز بھی سے رال کو جیا اکرے؛استطاعت ولو شیک ڑا نے اور 
اکا رد سے یک کا مکر ا ی ا مہا و مورا 118 1 بی ایو اقا“ ہے 2 ټل 
ہو اورکفرد ا کار سےچھراہواہوقو اس کے یہ سمارے اکال بکا رح قرا ای کے اک طرع اک رکوئی خی ایمان نی تصدق و انقرارتو ۔۔ 
رکا ےکی مدکی یساسا ایرو وت کے بجائے س ھی ونا بل یکا بر او رکافراہ وش کان اعم لقاع بناہواہ ےت ا کا یمان بار 


مارا مر بے ۱ ۸۷ ۱ بل اتل 
۱ اوراس ہ وگال . ۱ 
شض بی ننظرے "بیان اور اسلا کہ سرت تی اس اوھ کپ کافزممو ای 
۱ الگ ے اور شہارت رات الف سے ۔ جر ان رولو کا ا راطو اتاد اک ور کا ےگ شارت رسالت کے بخ رارت ورایت 
8 دند ور فا و نے اتد اخنما شس مک کی طرع ”ائیان* اور ”الام“ کے در مان دکھا 
جا ےو اپار سے فر کو ہوتا ےکن ا رونو ںک ارجا و اتحاداس در ہکا ےک اغتقا رپ ی ]شی ابیان) کے بخ مرف 
٠‏ اال قاچ اسل م )کھلا ہوانفاقی ہیں اور قال اہر کے بغر اعا افر ایک مور ہے اکس کہا اتا کہ یمان اور اس 
ولول کے وع کاتام ”ری سے۔ | 
یمان کا برا رس جا ۓ ' یں ےک برہے :ایا کے پارے شس ایا یش تکوڑ نل ناما ےک تمان شیا ے 
کم ایا ہے :ہک" رفت لاق پا مطل ب ےک ای کن جات ےکم اللہ" ہے او انام شاپ ودوگاراور جور 
ہے م( ê‏ ) الہ کے سے بے اور ال کے ر سول خی ہپ Ê‏ ٹس ر و رجت او رتلا تکوو تا کے ہا مے چ کہا 
ےر یبر یقت وص راتت سے کرو نس ول ے ان اتو کو ماتا انر ا ماد رت زس اقب ان ہاتوں کے !زعاو 
بول ے فا ےتوس یں یمان“ کاو جو اناما ےک اک لومون یں کہاچا ےگا مو نلووڈی ںیو ے جوا 
او کوچ او رق یا جا اوردل ے مان او 2 کی کرے۔ جب رای ھ٥‏ نے لا کید وت چو تام ال عرب 
افش اب تات ( پود و صا گا)الوہیت کے کی ھا ی تھے اور ے بات کی وب جاتے ےک مھ( کات پیج او رآ ری ر سول 
GE‏ وت سسجت رک کے بب ان فا کو او ر 
رکرتے ت ان کے ول ودای نو در کاو رار ےکاخ رہے ١ات‏ !”تا ان ک کوک مد 
آیا۔ : ٰ 
مض صو رون ۶۷۲ را الما "کی قد ضردرئی ے جن ظا کو این سے تی کیا بات سے ا نکازان سے اتا اھ 
ان ,0 عالیں یس یزان قرر اق ارپا مان )رو ری ر ہا شل 97 یلو کا ہے اور ای کے , 
قلب می تمر توم وچوو کان زان سےکوئی لی اد کرنے پ رادرس توا ےک کے بارے میس یع ےک اک اا 
) زا وقزر کے اف بھی ترا ہا ےکا e1‏ ر اکر تحص مال توف ایا 1 کان ان سے اپے امانک ا سک رس 
) سی سرت 
“e )‏ گیہشت جضت : وجود اماك کی کیل کے لے ”رال“ ت0 72 قب ار ززٹ ارارک واقیت , 
۱ ات کاشوت ۴ کال ای ایں۔ کیل وتفھ کاک ا او یسلا اا کی 
کک اک رکوئ کس دعوائے اماو اسلام بوجوو الا ا رتا سے جو تال ےکک علات اور اند الام کے مال ہیں یا 
نکو ا ختا کیم تد ےھ یت سس یٹ 


الَضْلُْ الاکن 
خرف 2 کل 


9 َْ غُمرین الاب زی لق ےہ ہش 


۱ فا ۰- 4 ) بل ال 
لار جل دید اض اھاب مدید سودالشُغر ل ری علیہ کر السَفروَلايَهِفهمِا َحَذحَتٌی جس إلى الي 
صلی الله علیہ َسَلمفَاسَْد رکو لی رکبهه و وضع كيه على فورفال محمد اخپزنی عن الاشل5مقاز 
الاسنام ان شد ان ل لبلا الله وا مْحَمَذا رَسْزلْ الله ويم الصاة وتي الرَكاة وِتَصُزْم رمان وََحْيٌ 
البَبْتَ ! 7 فج ليش اله صقل فيزن عن إا فان أن تمن بال 
۱ وفاایکیہ را زيه زم لج من بر حور ہز ٠:‏ رو فال صِذفت قرف خبزین عن الإختان ق الان 


اہی یر فی اع ىزارى غي شىرۇك کشر رحرلا عمق فلا یز گرنننی 
دكم روَا لِم ورو آبزشريرة مع لاف وفيه وذ رات الحفَاة الُراة اصع الم ملك الأزض فن ) 
حفس لأيَعلمْهُِن! ال الله را ِنّاللَةَیْدَة عِلم الشَاغَةَوؤ رل الْعت الاية- شنم 
رت رہن اقطاب یا نگھرتے ہہ ںکہ ایک رن( ھا ار حول خدا پل ک یس مارک ٹل بے ہے کہ اچک ایک 
تس ہارے ور مپا نآ اق کال بای نہایت صا فمحمرے او رسکی و تل یی او رت کی کے ال پات سیاہ( در کر ا راتھ ای 
ٹھپ نہتوسفرکیکوئی مامت شی کہ کو یں سے سرک کےآیاہوڈکوئی ایس مچھا جات اور س ےکوی ا کوچ تھا سک 
مطلب بے یاک وکو متاق صن را کی کاس ہمان بھی ٹیش حا بہرعال وکس یکرم جا کے ات قریب کرک آپ و کے 
گنول سے ان گن طا سے اور کرای نے اسنے دوگوں اھ ا دونوں رالوں پر رک کے (جیسے ایک سنداوت من شاگرد اج گیل 
القرر اتاو کے سان ارب مشا سے اور اشا کی انس لے کے ے جع من تج ہو جا ما ے١‏ ای کے عر ای نے عمق کیا اے 
مر( اج کو اسلا مکی یقت سےآگاہ فرب گے آنحضرت ری نے فایا اعم یہ ےک تم اس تیش کا ا خترا کر و اورگواتی وو 
کہ الد کے سواکواکی ہو رس اور ر( ال کے رسول ہیں اد کمانکا سے نماز عو(اکر صاحب نصاب ہو تو زکوۃ ارا ا 
شالت کے روز سے رکو اورزاور اہ میس رہ وتو یت ال رکاج کرو۔ ا نیس ےی نک کہا آپ ہاچ نے بج فرابامہ حضرت ت کر کت 
ای (ضادا یں جب چوا یہ 322 ایک لمآو یک مر پیل تو آپ تم سے دریاف تک رتاے اور 4- ین ھ2" 
تمان کیک رکا ہے کے یکو ان ہاتوں کک سے لم ہر جا اٹ اب ایا نکی تقیقت ہمان خر ے۲ نے گت 
۱ نے قربای ایا یہ ےک ال کو اور اس کے پرشتو ںکو اود ا کالہ کو اک کے رولو ںاو اورتیامت کے و کور او و رای 
مات مس مین رکھ وہ برا بعلا جو ہہ جآ سے دو و شتدہ نرہ کے مطایش ہے۔ اس ےنت یک کیا آپ( )ےت ذہاید پھر 
کل اب کے بای ہک احا نکیا خضرت نے فر احا بی ےک تم الگ عبات اط ر ام ا یکووکہھ رے چو اور 
کرای نن تور یی اتا حضو رقاب میسرنہ ہو کے )تو ہر( ہے وصیان می رکوہ او ہس کر ڑے۔ پچھر ام سر نے کیاقیامت 
کے پارے میس مھ با ہے ہک ب آے ا اپ کے را اس ما رے میں جو اب درتۓ والا: سوال اکر نےےوانے سے زیاوہ' e‏ 
شی تات سے نعل کک بن ےگی: مرا رھ یں جتنا م جا کے ہو !تاب ی بج کو معلوم ے ) انا کے بجر ا تن ےکا اھا 
وس (شاعت )کی اھ نشایاں بی کے بار ےپ بے نے فراپالونڈکی اس اقا یاک فکوفن ےک اددیر تپا بر ہہ 2 فلس وقق اور 
یں سے الو کرت عالیشان مکانات وعمارت مس زو رو رکی 3٦‏ وک وگے_ نضرت مھ کت ہی کہ ا کے بور ونس " 
: چا کیا ادر لیے (اس کے ارہ ی٠س‏ آپ سے فوا د ریات کیا یک )نھد وق کیا رپ کر نے شود یھ سے پا مرا 


ل تال کا روایت کے یھر ای نے سے پانٹ ھ حف ت صلی الل علیہ کم کے زرلا سے ما رات ےن 


“ارک مر ۱ ۱ ۱ : AA‏ ۱ ۲ ور اڑل 


جاۓ ہو سوالات 2 دااا ر کن ھا ل نے ی 1 اله اور ب7720 پر جا ننے ں٠‏ آپ و نے مایا 
7 کے جے جو زاس ری ے )نم لوگو ںوہار ا وین سکھان ےہ نے کے سم کیاروا و ضرت )اہر نے ند الا کے ۱ 
اتتلاف ون کے ماھ پا نکیاے۔ ال نکی ردایت کے افر ی القاا ول ہژں۔( آحضرت جات اتکی ن رر یل 
جوا ب دتے ہوئے فرااکہاج بت بر تپ ہت ادریہر کوک واو ںکوزن کرو یکر تے ویو یلیک قیامت ترب ہے ۱ 
اور امت آو ان ای چووں میں سے ایک ہے جن کاعلم اللہ تھی کے وکو ایس رکتا۔ او رچ رآپ ا سے آت اِنّاللەعنْدۂ 
علم الشَاعَة وَيُزل الْعَْبُ اھر میک ری( ی کا رہ ے سے !اد وق امت کا ہے اوربار کیب برسا ےکا اوروی_ 
(حال) کے پیٹ کی چچڑوں کو جات ے کہ ےک ار سکیس جانا اک ووک لکیا کا مر ےگا وک نس کو نہیں 
معاوم ہکس ز کن شس اسے ومآ ےک ینک لی جا سوال اورجردار-ی)۔۔''رجاری م۱ 
2 0 م0 ۱ 

الام کے مکی قوف کے مات اعلام و یا نک تیت ودنا کاو اتارک ارام شڈ لازبا ن مبارک سے دنا 
والوں کے ہا ع چ یک ایا ہے۔ 

عدیث شل سب سے کیل یمان اور اسلا مکی قیقت بن ہو نے ےناد ا کرت 
چک ایا ناتو ان نی تمواق وا عق سے سے اور لام اتی ا شال اور سای اطاعت ران داری سے ہے۔ 

”ا کو ےک مطلب ای بات مل نو اعکقاو کنا ےک ا کی ذات اور ال کی صفات رتت ہیں پار ت و مک کیا سرادار 

مرف ایک ذات ہے ا کے سکوی مج ور ہس کو اس کاپسوشری ک نہیں 

شتو ںکوما ے ' کا مطلب اس بات یل مجن و اعقاو کنا سیک الہ تھا کی ایک لوق 'فرشتوں کے + ے مرج ےی 
رخ نے طیف :ور فورالیٰاجسام ںان کا امہ وقت الہ تا کی عبات او ا کے اما مکی شی لکرناے۔ _ ۱ 

تالو کو ۓ*' کا مطلب اس بات می ٹن واعنقاورکنا کے الد تھا نے ملف روارمش اور واا ا سخ نیگمہروں پر جو 
تاش ازل فریائی ہیں ورہن کی تیراو اک سوجارہے۔ودس بت کلام فداوندگی اور اخم وفراشن ای انوہ ہیں اور ان شل چار 
کاش تورات اکلہ زلور اور قران می ر سب سے ایو ال او کچ لن چاروں یل سب سے اع وال ”ترآ فی“ ج 

”رولو ںکو مان ' کا مطلب اس بات میں" نو اتاد رتاس ےکہ اول الاخمیاء حشرت آوم علیہ السلام سے نےکر فام ا 

حضرت می تی جات مد سے سم سے ای ای 
نے !نے الام وپرایات در ےک رکف زبانوں: ف علاقوں او رخاف قوموں م حور کیا او اہول نے ال خد ال احا م وزات 
کت دنیاوالو ںکو ارک صداقت و ٹہا ت کاراست وکیا ے او شی و جملا چیا ےکا اپا ریہ لور سے طور اداگیا اور ےک ا تام 
نہوں اور رسووں کے ممردار شس رآ رولزمان حضرت مو ص طف جا رش رر re‏ 
محو ا ہو ئےء لہ ال ت کا ای ون اسلام نے دک خیام دنا ورپ کاکا تک رف و ہوئے وناق مت الن کی کی بوت 
اور | کی شریجت ار وناق ےکی ۱ 

لوم ]خر ت شف قات کے دن مرو رہ ہے جوم نے کےبعرے قاقت ا ونے ا پر قش دا ہونے کک 
رتل ے۔ ”یات کے دن کو یا ےکا طا ال بات می“ نو اعا انا کہ ریت اور شار را کے الح رالوت او آرت 
کے پارسے میس جو چ با با ے ی موت کے لحر یل نے دانے !توا ل اتراو ہرز کے احوال ا توشر هیا 
وناب او رگا رتزاءو ڑا یداد ہق ددذرغ یہ سب اگ تل ادج کل زار نلم ہے ایی فک 


٣ا‏ ی هرم 8 جلد اقل 
ا ) ) 
یر مس مین کے 0ص ی 0م 
اا اتے اوقت پ دفو زی ہوتا ہے ؟آ رج ج کی عم سرزد ہوا ے وا وہ مک یکا ہو یا دک یکا اك کانجات کے کم او رف می میس دہ ۱ 
ازل سے وچو ے لیکن ا کا مطل ب نمی کہ بندہ مجورومفط ہے ۔کاتب تز نے انا نکر ”ت ےی وس رم 
یک تن تک رق سرت ا وی زا 70 ئھ 77ر 
دیاس ےک نی کے راتت ر لوگ ےتوج زا و انام سے نوازے چاو کے جو الہ نل وکرم ہوگا اور ا اگ یدگی کے رامت پر چا ےت سزا 7 
زات کے مستوجب ہو گے اور رور ڑا لے جائؤ کے جوعزل یدرو وہ ری کے یئ طا یی ہوگا۔ ۱ 
صان“ u‏ نوا سد او سے سیل مستجوسب 
اور بارت ایی ہن معیار اور در مفقیقت بند کو مجو وکا کائل قرب اور ہریت کا شی متام عط اک رتا ہے فدہ اتی عباوتو کو اس کے 
وہر ےکس ططر عآراستہ زی نکر سکیا ہے؟ ال کا طریقہ سی یکا کے چب م اپنے پرور رگا ری عباو تکر وتو ا طر کر وجل ۱ 
۱ رع کون پوکر با لام ا ۓ کا اور ای کی رست ا کو اپنے ساٹ ویک کرت ہے۔ یہ ایک فیا کد ہ ےک لبق تن رکے 
سا ہو ڈوم لام ا یکو ر اس کے فشک ریا ریک کیففیت بی دو سرک ہو ہے اس وقت غلا م نہ صرف کیہ فو رگ طرع ‏ 
چا و ونر فرب او راوتا ےب کا کے اک یکا اراز یلو کی طر رح والہاد اور لصا وتاج ا کے بر خلا ف اگ رآ تانظر 
کی ںار E COPE‏ ای وت O ON‏ مورب اوربا ہنع ہوا اور 
۲ تہ ای ےکا )کر نے کے اراز ای قدددالہانہ او لما ہکیفیت ون ے۔ یں ا کک کے چپ نظ راک ریندہ عبات کے وقت ال سی 
کیفیت و الات حا لکرنے می کامیاب ہوجائےکہ ووا کو دک رہا ےو شوخ و خحضوح او لنٹ کی رام ترکیقیات خو ربقو الک 
عباوت شی ہیر اہو ای کی اور ال رخ ا کی عباوت تی عبات کادرجہ پاس ےگ اور ال عباوت کا بڈیادی مقص رج مل ہوگا۔ 
عبات کے ایس مر کو میتی اسان پک کیا ےج سکو اراب تصوف ” مشاب رود ا تاز ا سے لسر ہیں ظاہر ےک عبات - 
کانے سب ے اومماعرتہ وعقام ہے مال کک ر سائی اتآ ران بیس ے ان لے نآ سان طریقہ نہ نکیا ےک ج بک او کرو 
ھان مک اتکی ات کے ہوا ا ےو ر اک رج تما یکو وھد کن رود میں ضرور 
دک ہا تہاری ایک ایک جات ی ال کے او تہارک تام کات و کرات می سے پچ کیاکی سے و شبد ہیس ہے ال مجن 
۱ ا بھی تہاری عبات مس خشو و ںاور ربکا ح دنک پی رجاس ےگا اور یاد ت کان ادا واد حدیث مس تہارک 
یاک فی کو * احمان سے ج رکیاکیاے جو یا حمان شی شاب رد اتر ا کاخالوی درج ہے 
عد یٹ ٹس ان پار وں فرش کی کر چوپ سلبان ومن پر ا مل کے ساتھ ان ہوا ےکہ نمااورروزہتووہ رور 
وش عاو 7 ںہ اھان پر قل وبال لدان سے سے ج کی یں ایمان اور اسلام سے سم ے قواہ وہ عردہویاعورت اع : 
: و س کہ دہپانچوں وق تک میں پان دک کے سا اراک سے اور جب رمضانآ سے و کی ہچ کے پیر سے روز سے رکے۔ اوہ 
فزئش ہا رس ی کو اور ودای عباوٹیش میں شش کا تلق صرف ١س‏ من مساران سے ے جو ان کے بقد رما ا اعت حش 
رامو اا زی مسرانپ فرش ہوک جوصاحب نصاب ہو۔ اور ال ملمان پر ری ہوگاجوصاحب نصاب ی ای پک اتی تام 
ریات زنرکی سے فراطت کے بعد اجا مرا کت وکر کک پالآ درفت اورسفرکے دو سرے اخ جات پرداشت 
ا 990ھ اک الورک رت کے گے اٹ اوس و ال او لو ین کے تام ضر ری اخراجات کے بقدر رتا ساماند 
۱ ۱ ہہ ودرا دادر ادر نیت گا رادرک یہو ای وٹ شواریاں کے نطول ادرپ ) ۱ 


شارت رر ۹۰ ET‏ ہلر ازل 
صو ہت ہوناء رر مان میں نر را ور یا کا ہنی یی نت نان میں ۱ 

امت ن رھ ا جھ) شای گنی ہی کہ جب ے آجار اہ ہونے کس اور عاپشل کی ہام توک لین جا جے اک انام کے 
خا رب آلا اوري وا ائے وجور کے تر رورے ہک زدرتی ہے۔ بی علاصت یانحا یآ و ل ل ونژ آۓ 
آقاا ال کو گیا سک یک مطل توفلا ی کے زا اوررداج کے سال شی لی جاسکنا کل کرت سے پنیا راکش اور 
۱ اع اندوں سے اولا گی بہت جوا گے :پچ را کی اواارٹش ے جولوک ڑے وکرمال دج انا داو رومت وطاقت کے مالک یں کے ْ 
وو کیش ای ای باو کو جنہوں نے الکو دیاہوگاہ دو کے ور یتر ےی گے۔ اود ای فر مت بی رش کے ۔ اس مل ہکا 
دو اصطالب۔ یھی ہو سکم ےگنر جب مارو یس شی بے راف روئ عام ہد جائے روزن اغرال اور اناف اہن نول کوتوڑکرہۓے 
اہ ناجائزنعلقات ر اکر اود ال کے" ا ہاو کارت سے ہر یں ری وہ اٹ پا پک ہو او ”7 یا ل۷ 
جا سول او رچ رو نے بڑے موکرو یشان ایال ااا ی ن کو اہول نے جن ھا و ھور امت قرب 
i‏ ہے۔ دو سرک علاضت ”رہن اپرید م س و فت راو رکریاں تج انے والو ں کا الان علومت اورعالیشان مکانات و کلت 
۱ الک ہوا ”جاک اے_ ایس کے مطلب ی ےک ج بت و وکہ شرو ف اسل عا خاندالن اورپ بو صزز کی انقلا ب جا مکاشار ہو 
کر خربت و افلا ی اور بے ے رو گار ی و یتال جا کے کو ری کی ہو ہے یں انی حشرت وو ق یکو کے یں اور ماش قد اح 
کاو رسو کے حا ل ٹین ر گت ںاور ان کے مقاب دلو ککہ جرک ل تک صب رنب رات و جات ال و اتد ان اور 
تیب و شاشگی کے اتبا ر سے تا یت بے حیثیت و بے وق تھے ی و اغلا طور کم ترو ہماندہ کے جا سے تھے۔ ر تما 
سماستوا نقلا کی رولت ومست واقتز ار کے ماک من ئن ات کے زرل ال ور ولت اور ڑگ ٹک چک ادوں تا اور 
ای شان مکانات و حلات ک کین ہو کے یں د مرف ہے کل طات وحکوتہ ال ودوت اورپ میٹ دی نے ا کو کی 2 
وا ربناویاے: ؛ یش راو ھابت رک وا نے غ۶ ربو مفھس لوکو ںکیاود یراق اڑائے ںاود لکرتے یں اور انگ تایاور سوا 
کے پد ہے ب رت الات سد ار ےک کت شکرتے ہیں۔ لوک کہ اب اس ونیا کے فا کاوقت ترپ کیا ے۔ اتکی لکوعلامہ ما ۱ 
نے جنر جملوں می ١س‏ طر یا نکیا ےک تیاس تک اشن تانے را سے حدہٹ کے بی دوفوں چم را مس اننقلاب عالات ےکنا 
ہیں شی جب اتا انقاب رو نمام جات کہ اق ادلو انا ھا اوہ مام بن جائے۔ اورشرفا ری رڈیل لے یں ھا چا ےہ 
اب تاعا ر 1 یم انقلا کا وق ترب آکراے خے تام تکہاجاتاے- 

لامکا - رہ می عرث ا ریت 07 4 U‏ آي ورد کیک ہیں کک ےی ان “کک رانک 
کہ یہ ان خقا وظریات سے تی رسے ج کان اوریامنے کے کوئی فص رار الام میں ال چون سے اور موک تیا سے 
اسلام پار میس ایا کا ہ ےکن اک سے وی قہ دای لف )مراد ہیں جور کن پر ہوتے یں اور اذہ دارلوں 
یی نر کی ونیا م یی رد ارام تن مسلران اتی ے۔ اس کے ہو ر ”ا ضا ن “کی ذضاح ت کی تک و ”وراس“ ے تصرف ٠‏ 
سے گیا اتی کیا جا کا چیا لکفیتکاام ہے جو عقاو وطریات سے واک او شرب تک اشاپ وفرائداریی کے بروج ال 
ال کے ریہ دا وٹ ے۔اوربند کو ا ے مو کاتقرب عطاکرتی ے۔ در تی تیوں ای اک دوسرے کے لئے لازم دطزم ۱ 
ہیں ایل تھا کاقرب اور ا لکی خوششودٹی اس وقت کک اک لیس ہو کت تک اٹہ اور انش کے ر مول کے چا رک ونافز کے ہوئے _ 
اام دہریات> ری طر ی کیاجائے اور ی اٹ اور انس کے رسول کے نز دیک اس وق ت تک یں بول“ کادرجر ہیں 
لے جب گل اللہ طر ف کال تج نہ ہواوراہرے دیو خاری دی خوف وخثوت ال اورحضو رق پکیکیفیت طارگان ہو اور 
ان ولوک اک وقت تک کو اتپا ری وکا چب ک یک کرو شر ړت ہو۔اوردل ودا ییاو ین سے روش ن نہیں ۔ وس 


مظاہ ری ہر جي ٰ e‏ اذل 


جےجس ھ ریب چج ہہ رٹ 
فالخ کو ری طرع ادا کے اور الن اجام و ہداا تک کال اطاع تکرے جو اللہ نے ا رسوا کے ڈراہ ارگ وناق کے ہیں اور 
چ ریات ومھاپدو شی وکرو شل اور اوراد واف کے ۋر اخفاش اھ الاڈ ارخا مول کے حر ل اچرچ رکرے سے ١‏ 
ا انواسلا م تن وکال و رین قدردکی ی ے۔ 


ا ۸ U‏ ج زول Ez‏ 


٢‏ من ابن عمَرقال قال رہ شۇ الى الله علبي الام على هبي مَهَاذةائ 5 لهُ را 
مُحَمَداعَيْدۂُوَرَسٰو لو إقامالصلوة قۇ لاء الزكاةۇ احج و ضز رصان خي ع 

”اور نضرت خر اللہ م‫ بن گر روا کے ہیں کہ رسول را 2 وو ارش ادف رای اسلا مکی یا پا زورب ے اول اک با تکاول 
سے اقرا رکا او رگوائی دنا کیہ اللہ کے سوا jÊ E‏ لے ھرے اور رسول ڑل ددم پندگ کے ساتھ نار پا 
وم وتا چبا رم ریہ چم زان کے روز سے رکا جار لئ ۲ 


شرع :لامک تشیہ ”کارت سے وی چاق ےآ نس طر کو بلیر و إلا E‏ ۱ 
جب تک کہ ال کے سے یار سٹون نہ ہوں+ اک طرح الام ک ےگھیپای ذیادی تون ہیں جن کے ہفوک ی کے اسلا مکوجودو 
نی یس ےا ان یی ولون لوا کیا ضر بت کی کرفانکیاے۔اوروہ* :قر ٦او‏ حیرورسمالت کیل کرت ا اورروڑہ۔ 
ٹنیس خو رکو من ومساران بان اوزقا م کنا چاے اس کے لے ارم ےک وہای اخناوکی وکر دو نکی و اغلا ند کی ا سا ان 
ہیں ستو و ںکوقرا ےہ بپف رس طز سی نار کی شان وشوکت اود دیزی وخوشنمائی درو دا رک شش ونار اور طاقی و ۱ 
٣‏ حرا بکیآرائش وریا ش تع رہوٹی ہے ای طرع اسلام کے ن وکال ۶ ا صا ر گی ان اال سے ج نکوواجبات تات سے 
می یا ات ہے۔ ہا عدبیث شس چوک اسلا مکی یک وو ں ک٢‏ زار متصورتھا ابس سی سب انت ار نہیں 
کال ٴ 


بیان کش مس 

6رئ نی فر راز تز ردول رمل اماو رسام صانش زسم اناه رن5 ف 
اللهوَاذتاه إمَاظةًالاذٰی عَن ارہ قو َالْحَبَاءُشْعَتَدُمِنَ انان نمي 

”اور قمر ا ر ررد کک رول ضا پا ےار شادفرمایا۔ اما نی ٹا یس سے 0 0 عو گی 
شای ڈیا وول سے ائ باتک اقرادہاعتراف رہ ےک ال کے وکو و وکال اور سب ےگ دو جک شر کی الان ردا جز 
۱ کارا ست سے ہناد اہ یشرو جاگ ایا نکی ایک شا ے۔ "ار نا 

تن کی میٹ ںا یمان کے شجوں اور شراخو ںکی تیراو ہا کی ے نی دہ یں لک اکوایان و اسلا م۷ کنل پار اورخوشن 
ما ؟ یں برا ںو صرف ان شھوں اورشماخو ںک ت ر ارال کے لین بح ا عحاد یٹ می النای )تل بھی قوی ے اوروہ! 7و 
مل آپ اسم کے دد ہے یف رد صرت مرو کے صا ود اور کر للع لم یل اور مال جآ پک پا سال بوت 


سے ایک ال ہک عق میس ہوئ ی ہے ہے م وسال ڈرایا ۱ 
گے آپ کا مل ۳م رالا مر کی اور ےآ ےھ پا سے E‏ 


ا چ ۾ ) : ۹۲ ۱ ل ان 


لے : 
ھی جو نیاوی ے ا OT‏ ال ا قارو“ کا 70 007 
کازات وصفات بر ہیں ددکیش سے اویش رہ ےگا قاءاورددام مرف !کی ذات کے لے سے ج بک ہکاکا تک تام ہیں 
ما ہو جا نے وال ج ںہ ایی اش کے رسولوں ا ی لیالوں اور فرشتوں کے پار ے می اتا اعقاو اور ن رت اور الور 
ا آرت کا شو ر کیہ مر کے یر خر می برے او رنہ رلوکوں بر اش تان ازاب اور اک اور یک رون کہ ر79 انحاو 
کرام ہوتاہے۔ قا تآ ےک اور 1 ی کےا رحاب رکا بکام عل رو ر1 ےگ ی وشت جرا ا قالزازو ستونے حا اس 
2 ین کے زیاددا گال ایچھے او دنیگ ہوں کے الناکو یر وات نت دا نے )ا یس دیا جا ےکا لن کے زارد گال بررےہہوں کے انی 
رو جرم ان کے پائیں اھ میس تماد جا ےکی تام لوگ بل صراط پر ےگ ری کے۔ مین صا ین زات برک تال کے دار سے 
شرف ہوں گےے۔ نیک اور اے لوک ھشت می نے جامیں کے او رگنہگارو ںکودوزرغ یل پیل ریا جات کا سے ری 
. (م )ہت ہے جت میس پیش چیہ الل تھا کے انام وا وکرام اور ا کی وشفودئی سے لطف اترو ہوتے یں کے ای رع دز 
) لوپ فا بش یش ای کے مسلط کے ہوئے زاب یل مار ہیں کے 

ان کے شعہوں اور شماخول یش ے یہ ےکہ الہ سے ہردقت لوا رسے اور اک پور ف 
ا ا کرت ی سے بی a E‏ رک یکریم ہا سے کال بت اد رآپ کا کک یو 
رر ور لیت میس لپ ران رتے۔ آپ اھ کی نت لکرج آپ کے جیا ہو ئے طریقوں چان اور ؤآپ 2 
ارشادات:آپ چا کی لیا کوروان یناد پھیلا ابی آپ پل سے مین رک ےکی ول ہے۔ اللدادد اس کے ر سول چپ کی 
نک علاصت ا فرح ری ل جا ۓےکہ اس تتت کے مقابلہ ونای کی کی راو رک یکی رش رک مین کول ا عبت نر رھ ال 
اور !کی کے رول پٹ کی یت کی علامت اجار شرت ہے۔ اگ کو یفن ای اور اس کے رول کے قربا نکیل رتا سے اور 
ریت کے کا مگ لکرجا سے تو ایکا بے وکا اکہ وہ اپ ائ اور رول ے مین نکرتا ےلین جوش اٹ اور ر سول 
5 سسمس E‏ اک وپ ا کول اش ورول کی اک مت ے پلک فال 


7 ون اک شا ےک چو e‏ ق ہو ور اخلاقی وہ اط تیا کی ر ضا وو شتوری 
کے لے ہوا ونمو یم دای طرش ےن ہو چس چاںنک ہے ا ال مل الا پی رن ےک کوٹ کرٹ چا در نقق اور 
کاڈ گل ے من کال اورا 7۴ لت کرد ےگا۔ 

م ڑا کاو ل مہ وق ت نوف غر اور تیت | و کم اور رھک مرو ں سے ھر رمتا ہے 
اکر تخحاضائے بشت ویرک بات پاگناہ رزو ہو چا لو | توا لوژاظو خی رل ےوہ کے لع ہآ تو کے اہول سے اجتلا بکاعیر 
گرے اور الہ کے یزاب ج ڈ رتا ر ے اور ہے اسک ےگل او خی فکام می ای رک رجمت اور اس کے الام و کرام ےآ لے 
رے۔ رر یقت ہے ایما نکا کا ایک اققا ےک چیک یکوک تاو انت تاران رزو ہجات تو ڑا احا نرا مت وش مندگی کے 
ساتھ ا کے حضور ای گناہ ےل کر سے ادحا کش ک ایکا و اک اک اراب یک کے ب دو ہک شرماردزگ اور 
ل1 6 ے۔ 
ھ8 ا شک اراکرتارسے تر سیت و I‏ تبرت کر 
سسعت سمسپسسسسوئنی صر3داأفطر 


ا جا | 9F‏ | لرا ٠‏ 
دےاور نچ ری ریس ر لارے۔ : | ) 
کک ایا نکاتقاضہ کے وھد ہکرے تو !سے لی ر!کھرے ممیت ب کی رکرنے: اطاعت و فریاتبردارٹی کے سق 
پراش یکر ے ءکناہوی سے پھارے۔ مز ے اور اللہ کرک ےرک رے اٹ توک یکر ے: پژوں اورپ گول 1 2 اترام 
وگوں اور کول سے قت و مجن کامعامل ےکر ے او رگیرو رو وتو کی رکو نم شی دوش اور عم وبردہارگ انتا ررے۔ ۱ 
ینا سم “اور ی ل ایبان "کے ار یس سے ی یا کہ براب رک توحید وشیا ت کا وردر کے قران شیف ےار 
) ام جس ہ تو ا سے 2 ووت حا 94 رے گرا مہ ڑا ہلروں لو ار سے نے تام رس امیا کے ے شرا ے رد کالب ان 
ا اک یکا کک رکا ر سے :اپ اول ےا فا اور شس انوں ےار ےب روق تکام ری و س2 الد رول ا ر ٣‏ 
مائزو ںی کا رحن وا فی ولا 5 اوروئثپ اد ارم روزدرکمنا: جاے 0 فش : رکا ماتا صدقہ وا شواہ ی ولاز 
لامو ںکو آزا رک ناء سخادت و فاش یکر ناء اعتکاف یں شتا شب ټرر اور شب رات بل عپار تک .رق و عم کرناہ طوا فکرنا۔ 
دارا رپا ےملک سے جہاں تی :جو رشن وے حال او ر کرات وبرعات کازو ر ہو وار الا سا مکی رف ار تک جانا ید ختول 
سے پنااپے دی یکوپ ری پاتوں سے کٹوط رئا زرو ں کال اک راکذا رو کا او اکر 7 کا رک سے چ کے ے اکر ای وال ۔ 
کے توق کر ے طررے اد اک راء وال ہیی کی دعس یک رکا اود شرن اٹل و ا۱و شک ری رکا فی اول کی شربیعت کے طا ریت 
کر ناا ے٠‏ کی سے متس موک ارتا اق جاکموں الو لااو رسفا م< ارون تالبعد ار یکنا اور افیا فلاف شر یں 
ٰ کاو تہ دگیی۔ لام اور با دک سے نر اور لان سے ہی آنا اکر ساب اقتزار اور حاکم و ہو تو الصا فرت لوکوں ںا 
صفا یک ران اسلام سے پخاو تکمرنے والوں اور وین سے ہے والوں سے نک وق لک ای باتو ںک یم کر نہ رک یاقوں سے وون 
کور وکناہ ال کی ماب سے مقر ری موق راو کا چار ی کرٹ دن و اذا یش فلا پاش پیر اکر نے والوں اور الیل و رسو کا اکا کر 
والوں سے سب توت د استطاععت خواہ ہتصیار سے خوا تک ون پان سے جیا رک رنہ یوش ملک کی رعدو کی تھا کرت ماش تکا اوا 
رنہ ال غیت ایا یال حط بیت ابال س کرنا: وعد ہکا مطاقی فرش لو ر اکر نہ کیاکی دک چیا لکنا اور نس کے ہا اھ 
لوک ے شآ وو کے ات ماش رگن موا نا لال ریق سے ما لکھانا اور؟! کی تا کنا مال وروت لوپ رن مرک ) 

اپ اور ای ط رچ رنا_ ضول حر ت ہک رنا؛ سل 77 اور لام کا تاب وا جب کی کو چجحیی فآ نے آو ر مل ال ”نا خلاف 

و وب یل اوہ ادررہے اشوا سے ا جحتاب کر ولون و ملیف ش انپانا اوررا ستوں 3 ,اندو روک ہناد بات رھ رادگیروں 
ک وای ف و نقصان‌نہ ےہ ہے سب ائیان کے شعہوں اور ایی اک ہیں۔ ) : : 
) راس سے لف رہ زوا کے ہا ےکا مطلب ےک اکر راستہ می ٹیا کاٹ ڈڑے ہوں شس سے راوگ روگیف ”ج ہوا 
غاست و فلا شت ی ہویا ای یکول بھی تچ ی ہو ی ے راستہ کل والو کو لقان سنی تومو نکایہ ڈنل س ےک انا ولا ٠‏ 
ررر اا 28 وچا E‏ ف 0۶ 1ج رب ور 1 کی کوٹ رر سے ۰ ۴ ے چوراستہ نے وا ان کے 
ےکی ف کاباعٹ جو اور عارشی نکی ر مزشاس اا ہوں نے تو اس سے ہے مطل ب اف کیا ےکے اتان ۓ وای تام چڑوں سے ۔ 
صنا فکر نے جوتجہ الین او رہ رشت کے را ست رک رکا وٹ قا مت ہوک میں اور این ےق بے پرا و کیت کے فا ل کک وکر ر 
مال ی ام پاس ائمان کے شحہ ہیں من موک کوک لک اشرات رو ری سے اس کے ایا نکی کل دو ر اسلا مک ایک 

) زول سے پی راتا سے اک کوگ یخس ان باون سے خالی ہے اور ا یک ترا نکی شا عوں ے مور یں ے سناچ اہ کہ ای کے 


انی یل شس موی کو چا ےک الھک یرد اور کک قوق چا ھک انا راقو ںکو اختیا رک ے۔ 


6 رن دالو ن عرو قا از رشزل وای لعل وم ملچ مَن س لِم الْمْنْلِمُوْنَمِنْ 

۱ ود الهاج من مُجْرمَاتهَی اللذعلة هذًالف ماري زلِنسلِوقَالَانٔ رخاز ھی ضا لعل 
أ الْمْسْلِمیِنَ یر قان من لم لمزم نمویہ 

”اور خضرت داشر راوگ 7 رسول خدا 35 نے فربایا” کال مسان وہ ے 001 نے ضس 
فو رچ اور | مل ہاج روہ ےجس نے ن قام چو ںکوچھوڑدیاشن سے ابش تھائی نے فا یا ہے “۔ یہ الفاظا جخار ی کے ہیں او 

: سے اس موا یرن الفاظ شس ل کیا بی کمخیس نے بکرم 28 کل و وپ ےکپ رکون ے؟ 
آپ کا نے قرا کک ز بان اراھ کے ضر ے لدان محفوطرہیں_' ٠‏ 

:ریف کے بل زوش امس طرف شار سک “من اور لدان فحض سک ام ہیس کو یق سخ لکل ہے لے 
اور ہین اکال و ا رکا او )کر نے بک اسلائی شرییت ابے ون سے ایس ای کرو ترک ااا اک رق ے ج کا حائل ایک 

۱ مرف مان و اعمالل کے فا سے اٹک ”نرہ پلا نیہوت ؤعری طرف وف راشیت کے خا سے ری طرح ئن وی کا 

کون او ر کیت و مرو ت کا ہو ان و اماخت؛ اخاشی ورو اواری: بجر روک و خی کال یکا یی زن گی یس دیس طرح ولس 7 

ب رانا ای سے خو ق زرہ ر کے جیا ا یکو ااج ررو٠‏ کی خزاداو مت سے او رکیاا کیا چان ویرد جرمتابلہ یس ا یکو پرا 

ار اور امال ر کے 

2 کی رٹ سپ اور زبا نل تمس سے ےک عام ویر ازا رما کے رور سے یں ورت یبال روہ 2 رے؟‎ ll 
سے نیف اف کی سے خواد ووا اھ ہوں یاز ان یلو وو ری یک‎ 
حدیث کے دوسرے جن یی ی ہاج ی نوک کے لو تارا کوہیں کے شی نے دای راش ییار‎ 

پناک راو اجا کک چو کردا رالا سلا مک اپا گنا بنالیا ہو ہی قرا الا لام زیت دع کی لگا سے یتاس اوہ اس کے لئے بے شمارجزاء 

و اع قزار اا ے کن اس ھر ہش سے محلو 27 کارت کے علا ودای : اثرت اورے * DA, ٣‏ رووا رتا 

| 0 ب8ہ]/ ن چڑوں ےن ایا م کن ان سے یڑ رتا رے اور او کی ر ضا و خوشخودٹی ی لک ر کے لئ 

شان خو شا تراک دک کے اھ تی اختا ےہ ھا 


ورات گہت - 
® رعا قوز وئۇل صلی اطع مل 2 یں اد علق عل از اعت ین وواه 
اور ضرت إل وا E‏ ای نے یلا ےک شان رت نول مس یم ختاہب 


ل حضرت یانش جن رو جن الوا ی مل القزر اء ر الرتبت فام ند پاے اہ اور ڑے رجہ ےکی و عابر تھے آپ ہا خی آپ کے ن وفات 
جس بہت ز پا پان ےہ مل گر کے 3 فا کی روات کے ملاب ریس ہے جج مہ لآ پ کا انال ہو؛۔ 
ار ضرت بس بن ماک ہن ت انارک ہیں اور مرن عیب شی سس تج شس ۱ 
الد عم می سی مم اتال ریه : 


طابرلق بد ۳ ٰ و 

لہ یس ا یک ای کے با پاک کی اولار اور تام لوگوں ہے زیارہ وبدب چاؤں۔ ارک ) ۱ 

تش : ”بت “ایی تو ی ہوٹی ہے کے اول کو با پک ابا پکو اولارک محبت۔ اک کیت کنیا ر بی وانیو پیت اورف ری قا ' 

توا ےا شس کی انارک رورت اور باکر ضل یس ہتا۔ ی کے مر خلاف ایک بت ودنا ےج ی ید ریو یار 
) تا غے کے تحم یں ہو ت بل ہس یی ضرورت ومناسبت اور قاری دا منگی کے کتک ما ے۔ ای کی شال مرک اورووا ےکن 

با رس دواکو اس لئ بین ری سکرتا کہ دوالینا ا کا ہی اور قط ری تقاضہ ہے بللہ یہ وراس لکاتقافضاہو ا ےک اکر ار ی مک را 

ہے اور کت کے ے لوووا تھا لکری وی واوا ی دذاک یی اورکڑواہٹ بیت لای ہا رکون ت ہو ای طح رس ینس سے 
مع مکاکوئی حمتے یھو ڑ ےک کی کے فاسدمادو ےھ ریا وتوو ہآ ی کے لے اسآ پک کی ماپ رار اور سرشن کے وال سے 
سک رتاک ا یکرم الات اک ی چک رک ای ن ہے یا ا یک طیعت اف ےجس کے اس حقہ پر نشت وچپ رک ری ےکلہ 


:. نل ودنا یکا تقاضا ہنا کیہ اک رک موقاس ارہ سے صا فک ماس ےتو تو کو اک جنر ار یا جن کے وال کر 00س n.‏ 


کی طور بر چا او پئ کر ےکی و کے ج سکو د عبت '' سے میرک رت ہیں نخس الات میس اتی شید ا یری در اکا انم 
بن جال سک بی ےڑک کی مت اوربڈڑے ے بڑے فط ری تفا پک فا ب آ ای ہے لی ہے عدریث زات رسالت ے تی 
یت اوروا مت یکامطالبہ کر رتی سے وو عم وشن کے تردیک کی ”ی کت سے یک نکمال ایران و نکی جا ٦‏ ل بی انی 
برا ای رلور اور ا یک تر ر ذال وای کے سا تح م کیہ کی ہے رغاب آجانے۔ ا یکو ای ں ھا اسیا ےک اگ 
آ خضرت ٹن کی ہدایت او ری شر ی ری یل م سکوئی خوٹی رخ جیے با پک حبت :او وکا پبار کوٹ بھی دو شیج ین رکاوٹ 
ڈا نے تو ال بدابیت رسول اور شر یع مکو و اکرنے کے لئ ال خواع کے رخ او بی تان وب کور نظ ر ارا زکر ونیا چاہے؛ 
اثاشات اور غر جت کے زیر نر سے ہہ بہت راا سے اوریی مھا اکا سورت یس ام جو ما ہے جب ائ مان و اعلام اور تپ 
رسول Ê‏ کا وغو کے وا ات نشی کو اجام رجت اور ؤات رمات یں فا کر رے؛ ایل اور ال کے رسول پا ل رضاد ) 
خوشنودی کے علاوہ ال کا ذو رکو مقصد حیات نہ ہو شال کے طور بن یک رکم کا کافران ارک ہوا ےک ال ائمان ہا کے لے 
یں لن ری تل ٹیس ایل ایمان+ و نان دن سے لڑنے کے لے میړان نک میں کے یع جب رولوں طرف سے ص فآ رای 
مول ہے دورحریف وتم ںآ سے اسآ یں وی لرا نکو انا لاوس نکی صف میس نظ رآ تاہے او کی کو انا باپب۔ اب ایی طرف 
توو ب گنت ہے ج کی ےگوا اکر نٹ ےکہ اپ یوار ا ہے باپ یا ات ادلا کے توان سے دنک جائے ؛ دوسرئی طرفم رسول پک 
و نکاکوئی بھی فر موا رک زر سے امان شر پا سے سے وہ بنا اپ یایا ول نہ ہو ارت کی ناقا ی تردی رصاق وای رق ےک بے 
ارک مو ول ویمان ب کے کے بھی وم ی اش مس مزا نمی ہوتے ٠ا‏ نکویہ ف ہک لین میس ویک ل کی کی افر ہوک 
ی۳- مولن پا .0 اب 1 ایت کو 1 کک ہے نہ اولادک۔ او رکچ رمیات جنگ یش با پک وار بے درغ یولار تون 
پان رال جاورا ےہا پک ومرن رتاک اکر کی جائے۔ .٠ح E‏ ُ 
:رال ی کا لیے ہ ےک گل اما کار ارحب ر سول ےن ھی شل ذات ر الت ے ال در جن گی کیٹ ن موک 
اک کے مقابہ رو کے بڑے سے ہے رتے؛ ہڑے سے ہے اق او رڑی سے بی کی حبنت و جات ی ےن مو و کال 
ماران ie‏ ٰ ا رج تا اور ثول ے ودا بے ایا لن د الا 6 نایار عوئ یک رے۔ a‏ 
جخرت عم رفاو کے پارہ شس قول ےک انہوں نے جب ہے ص ری ٹہ تور کیا ”یار ہو ابل ا ریاس صرف إن جا نکاعلاوہ 
آپ کا کے سب سے زیادہ بوب ہیں “ئ رتا کے او رتام رشتوں اور چزوں سے زیادوی شآپ ف کی مت رکتتا ہو ری 
نے زیاروٹیں ۔آنحضرت فلا نے رای ا زات کک جس کے قبضہ یل مکی جان ‏ ےک ا ببھ یکائل می یں ہے ۔ 


١ EEL E‏ لد اوي 


ا ےک مرت اک وت ال ہوسا سے ج بکہ م یں اکا جان ست جکیاریادہپیارا ہو ہاڑں “ان الفاظط بوت نے کے آن۔ 
وام رش جطرت ر کے رل ودا ی دنا ئل 7۴ رک مو وہ ہے انتا لرنے۔ پار مول اللہ !۴ آپ کک ب ری جان قران 
آپ ا شال ہے مگیازیادہ یارس ؛ یکر 3 پین نے ن پرا نکوہشارت سای نہ اے گر ا اپ تمہارا اناما 
اوک 
` ور صرف گار ی یں ام سارہ ای نو سے سشاز ےہ ا نکی ندکہوں متم کی 
آپ لی کے کات اعبار ورور پہ اک جاو ل اک پھاو رکز تھا لاش وتاک اول ہا ےراشا ور چول کےا ای لی ور محبت 
کی شل بش سر 
ار ول الہ پیر کڈ ات اق یں ملاشک ما و وت شم 1 شس پوه یړوا وار عاو رواک( سارت وخوگی ی اصو رکا 
کے ےم 7ھ 0 اپ دک مل بے ار امیے واقعات چا ہدئے ہے جورسول ارم سے 
ا رھ 7 نیز وا تی اوردالھانہ کیو نف نی ابرا راز یر ے یا 
روڈ اع کا واھ سے مړا تنگ مل جپ کے گار زا گر د اورک 1 راغت پا کے اشک جار نے لوری ال 
لات سے کی ورکیم اھا ےک ایک انارک وریت کے شور ماپ اور بھائی تیوں نے جام شہادت پیا اور رسو لامرم کا کی 
زات پردلوانہ وار شرام گے ؛ ہے وراز ترا عور یکو ؟ کی ایریا ا اکرم سی مھت کاازلہ 
چاے ا کہ دو ورت اپ لواش نکی شارت پرلہدشیون اوران وڈیاکرگی ای سے سب سے پیل ی سوا لکیاد . 
"قارا اوگ میر ےآتا اقا اور سارہ ول اللہ وت ([آپ ا ر چان را )وکر ؟_* 
لوگوں س ےکہا۔اں” آپ جال ہمت ہیں “کر ان EL‏ کی 
چم چرام 1نی نکھوں سے درا رکرلوی ںتوشین چوک “اور جب اکن سے ای ھوں سے افو رکیزیار کر توول: 
٣‏ کل مصیبةبعدكەجلل۔ سسے ”ج بآپ زندہ امت ہی ںکوہ ریہ تآسماان ہے" 
امت ایی ف رمت ارک نیس حاض ہوا اور گت اپار مول اشا آپ ہلا اف ات 
۱ بوب ہیں مج ےآپ کی رال ےتوس رت ںآ جب ک کک یہاں اک رک ا ا 
ری کر لی گر اب قوی ی مکھائے جا سے کہ وفات کے بعر آپ ڈ5 توانیاء الام کے باہو گے وپل سیک 
ین رپ ل کیاکی ےک رح کی۔ جب کا ےآ یت ازل +ول: 


وَمَنْ جع اللةۇالۇشۆل فأولي كمع لہ ن ناهین ر هنو لاقن 0-22 -: 
٣‏ اولك رقشا شا ۹ 
”چو لوک اللہ ورسو لکاکہناما۔نے میں وہ زآخرت ممں) یں ۔اتھ ہیں گے م اللہ تیا کے افعام و اکرام ہیں ن بی ٠‏ مرا 
شید اور نیک لوک اور ان لوگو کی عحبت ڑگ کستدے_' 
۱ اپ نات کے ان قان 71 سے ارت سارک ۱ 
دالت مین زیر بنا عہدریہ ماب ازان کے ف ے غور ےا مک مکررے ت کر 
) صاجزادہ نے اکر یہ انوہ اک رسا کے مرو ر دوعا Ê‏ وصال فیا کے سمش ہوک سے سرشار اور کیت رسو سے رست بی 
الہ اس جا کا زخرکی تاب ضیف دہ لا کے ےناب ممیت ود تک افد کے اخراوترا اب کن 


) : ر ما ٠ LS‏ 4 . جرال 


بال روات رو IRE‏ بل OY ES‏ 
رک ےکی ترچ الست ۔ ) 
ان وافعات سے معلوم ہوا کہ ا کرام رضوان ال یم می نکی ےرم جا ے یز تنا یکاردی سقام ما س٥ل‏ اچ اک 
رسک کا تام سے اس لے ہر مان کے لے ورک ےکم اکر وو امان کی لاک اور نے اسلام یس مض وی سد اکر ناجنا ےتو ہی 
:72 کی یت و تی رت سے اپنے د لکو و رک سے اذ رپ کی تق مات ل چ اہو نے کردا حجات جا ےکر رسول ) 
ا انا سے کب تکامعیار تا جح ری او راتا رسول سے جو ٹس ریت 0 فی سکرتا او رآپ ڑا قلتي چت 

ود ال با تکو اہک رتا ےک ہو زباوہ سے حضور وا سے کت کی رے۔ 


للت ۱ 


70-2 یٹ یر مک ومز اخٹ خی یراہ شر تی هکره زی رنت ان ن بن 
کَمَايْكَرَهُأنْيَلقَی ف یالتار نمر 

”اور حضرت نس راوگی ا کے رسول را ا e ea‏ 
ے الف ائدوڑ م وکا اول اےاوقا ا رتا E‏ ھک ےید ےا کی 
کیت اش ای نو ندرک لے و ہرس کہ جب اے الہ ن ےکرک تر ہے ے ال اھان الا کر دی اہ ٰ 


دیو اب وہاسلام سے کرجا ےلو ا نا ای ہراجا صا اک بیس ا نے جا نک و" سر 
ار کال اتاک تقاضایے س کہ من کے ول اللہ اور کی کے ر سول کی گت اک درج ہز یں جا ےکا ےراتا ۱ 


۶ زی اتکی کے سا نے ری ہو۔ 


ای ےش EAT‏ ال روہ سے حی کرت ےلرک ا کی خوشیقودگی اور ا کر ضا کے ٠‏ 
LS‏ ہوصرف ال کے لے وی ےکم 
1ہ ج- 

ام می ائیمان کا+ گی کے ماھ ول شس بی جانا اود اعلام 76 7 و وت 


رکا کے ای کے تصور وخا ل یک ری ے؟ دل پاک وصاف ہے ایا کے کال ہو ی کے ٠‏ 
ہت اکا ےکی مرت می رای یاک ایا نک ا ی رول ت کا کک اورا جزاءو انعا مکا ووی انس ہے جو ان تیوں اوصاف 
ے ورک طرع عض مو اور اییان کا اک لزت زاھ وی کے کے مم کرلان چول کرد اکا ورب 
نت اک طف ٠‏ 
© غی اعاس بی يدالب قان فان زشزل صلی الل عليه وماق طم الانمان نى بار 
َبالْاسْلامدِنازَبِمْحَحَ رسلا زرد ا 
”اور حفیت عائ بن عالطا ب سے فی کہ رسول الہ لا aE E E‏ کیاکی اور ) 
س آپ حشرت عبدالطلب کے صا تزادے اور یکر ل ال علیہ لم کے میق بے ارہ رجب ۲ھ بجع کے ذ نآ پ ۷ا اتال ہوا۔۔ 


گرا کک کو انار سول وی سے مان لیا وھ رک کی نے ائییان کزان کک کی سب ) ۱ ۱ 
شرع :ابش تھا کی رومیت اور ا لکی زات وصفات پر انان ٹر لی ٹل کی ر رات ونوت مس جن و اعقاو رین دش بتک 
۱ ات و صراقت ہ کال اعمار اور اسلا تلات و اککام کیپ روگی+ ا ںکیفیت کے ساتتھ ہو چا ےک دل ودا کے کوش یل ۱ 
گول 5 وکو 029 در وو رکوئی الا رگیاڈردبراہر محسوینہ ہو ہو رشادر ب؛۲ ینان خا ر اوروا وزی سو نک وهار 
ور ے وا انی و مارگ وچ ر شس رایت کے ہوک ے ہو ج وی کول پچ کے ما ی ہوجانے پ دل ورا ادر عم کےکورے وچو رکو ت 
وشادباٹی اور اا رازگ سے رشا رر رت ہے۔ بی بہت ا بات ہے ام یکوچ عالت می رتت رھ چا سے ۔ اس امان وشن اور 
لآ وی میس اک ری طر ح کول ؛نقبا اور گر رپ راکم کہ اما نکیاروح رخست موی ایخ پہ ارچ اہرتی طور ہے 
اھان د اسلام کے ؟جکام از ہوں کے کر ”اغلا“ ے ال ہوئنے کے سجب نہ اکا ایما نکائ ھا جا گا اوز تہ ان کو خسن 
ا ملام یب ہوگا اور نہ الما دش نکی یاز ت سے وو لطف اندوززہو سک ےگا۔ ۱ ۱ - 

الام ی پرا رجات سے 


نے 
٦‏ 


ش۹ ود یں یپ ہیں : 7 و ۰ َ0 لھڈ r‏ کی سنوی و ہے لگاپ ا 
(۸) وَعَنْ أي هُرَيِرَۃقَال قان رول الله صلی الله عَليِْوَسَلم وَالذِیٰ حمل يده لا نمع یی احَدمِنْ هده 


الْمدیَهزدِی ولا ضرا لُوٌتَم وس وَلم زم بالن از لے به الا انين أضخاب انار ر 
"اور حضرت الو رہ کے ہیں کہ ر حول الد چوا ئے راا الات م ٣‏ کے یہ یس رفاک ہان ے! ساش۷ت ش 
سے جو سبھی وا وہ ہو ری ہویافععرائی :میرف نبو تکی تر پائے او رع ری دی موی شروت پ امان ٹا ےلیم رجائے ٠‏ دوزوزتی ہے" 
7 ۱ ۱ ۱ ٰ 
شرع :اعلام 1ی کآفاقی نر ہب سے نس کے دائرہ ا اعت ش نآن تا کات کک لے ضرورکی ے اور الہ تا ایانب سے یمیا ہوا 
بایان لاتا ی قافون ےن ل چ روک دنیاکے ہرس لاز ے٠‏ اک طرح یر ملام ا ی رات او رآپ ر نبوت ۱ 

بھی جوک ایر اور ین الاتوائی ہے ہردور کے ے: ہرقوم کے لے اور ہزطیقہ کے ے ؛ ان می لی کا اشام نیس ے اس لئے 
ً آپ لا کی ر ہاات پر یمان لان اورآپ کو کی رل وف ریت پ رم لکرنا سب کیان فر ہے خوا وکو کی قوم کی لک اور 
کسی طت ےرا n.‏ ",0+ ) :. 1 
"س۳ ال عد یت ل ووی ا ومرن سی عیسا کوک ان بنا ہک یاکیا ےک یہ دونوں قوہس شود انا ایک وین اور ایک شرپ کی ہیں 

اناق یق ساٹ یکا 0 یں 0 کو اکنل و محات ا ےکا ال نکوخیرا حم تاس لے ان کا ورک کے اش طرف اشار ماک ے . 
وولو شل رتور بے مرو ںک لای ہو رجت اور ال کی جانب سے بی مو تالو ں کاٹ میں او رج نکا دن یا ود ٤ے‏ جو 
اد ایی کا اتاراہوۂ سےتو وید تخا کے آخریی یت اسلام کے نفاذا ورام این پن کک رشت کے بع رجب ال قوموں سے 
لئ تق الام پچ کی ر لٹ تلم کے انی جار نیس اور ریت الام کے وائرہ یآ کے فی را نکی نچا ت یں وروی قوش 

Te: )‏ وش لٹا سام ر ابان کل کے اخ رب ری ضا کے ی ہیں ج یآ ان د نکی انت یی ہیں جن کے ی کی کر 
۰ یلاک ہو وکا بی بیس ے او رچ اللہ کے کیچ ہو ےکی یو رسو لک پر دش نی ہیں۔ ٣‏ . 

ا ات اور ے۔ کور اور حیسال کہا اگرئۓے ےکم الد برک روہ شر و اور کی کے چروکار اور الل کی اتا ری ہو لہ ہے 

رج آورات و پیل ےن ہون ےکی وجہ ے متوخود عبات ا“ ہیں جق تتو ہار اس ال یف ےہ سکیا ضرو رست ےکم 
گر الکو اا رسو می اور اسلا مکو اپنا دی اک حدیث کے ڈ ریہ ان کے اس غلط غقی رہ وخیا لک کی ترد کیا ہے اود ان ی 


E‏ 9 کیال 
کر ITER TORT TETER‏ 
ری کو کی ہش تک ایک ڈیادی مقر ہے کالہ مال شر یں نور ہو جال تام نراہ بکالعدم ہو جال او رام اکا تک 


مرب ایک مور ہب ”ر و م| کے رارم شس اھا کے جو ایکا سب سے ؟ 1 رکا ر سپ ے ایو نے 
iS‏ نے وا لے 

0 90909000 تلهم آخران رجز ةناخ لكب ۱ 

ميته وام بِلْحَمًد وَالعَبْةُ الْمنْلْك اذا سی سم یں م سو سی 
کے سی نشم تم ریس مہوت 

”اور خضرت الو موک" اش کی کے ہی ںک ہم یکرمم کا نے قریا ای ننس ای ہیں جن ےھ حر 

سیا کوج اکا اپنے ی انان رکتاتھا پچ رج ج چہ یمان لایا۔ اس خلا مکوج الد کے تقو بھی وو ار سے اور اپ نال کے ) 

و بھی وو اکر ا اک وک کوئی پات ری یاو روه ای سے کب تک رجا تام لہ الکو اچچھا ہش ہنا چم راس وخ ای 

لیم دی دو رھ ا یکو زا وکر کے اس سے ار ا لیے کید ہرس ردوگ وہ 7س : 
شض اس ؛رتا گرا یکا متھدا ن ن طرح کے فوگوں وشار ت ذا E‏ 2 
یس کے لوک روا کاب( یہوییاورعیسال )یں جو تواپنےدین ‏ تھے او کر غوت اسلام کرات کو ا سلام و گے ١‏ 
انت عوووہرے] شارت رٹ ناویا کے کہ ال کا لے ی کو ج ول ے اتا آي ای ری پو کر ریت رٹل رنااور 
اس ئی سے اعتھاوی و می ولاق کن او ربم رام ان کر الت و نبوت اود ال کے ارک وین الا مکی و عوت گر صرق 
ول سے ا کاعل ت کو ہو چان نہ صرف ےک ان کال انقید و اطاعت اور اک کک رکی و ہنی لام ت رد کی علاعت ےک اس ۱ 
مم مس ان کے ی وی انا رکا ظا جیا کہ سے ابت ی اور ہابت دن سے عقیرت دخان اورزیردست جنر لگا کے باوجود 
اون نے وکوت الام یا اکر اور الد کے تھی یل یس اتی نکی کادھا رک ارم مرڑی اور اب ہے اخنقادکی باک ڈور دومن اسلام کے 
بر وکرو چب کت انا کے ساتے اسلا مم ی وکوت نمی کی کی وداٹے دی یکو اکا ورن کک کر اس کے علقہ وش رےاورجب 
اسلا مکیاد حوت ال کے سان یتو ا نہول نے ا کو ایکا ری وین جا نکر ا سے لے دی کو چھو نے میں 01 
تحص بے کم نمی ایک فرتم یآوز ی لی فک کر مر چا عولی کے فلاموں یس شال ہو گے ٤ر‏ ایی نے خی 
فیا ے مور نکو ہنی کل پر دوجرے اج کا قاردا ایک او اپے پا بایان کس رت ات بر 
را پا راماك لى . 

ودای O‏ صو سیت اور از سرن اسلام یکو مال ےک و ے 

تورات وا شارات اور ای بات E‏ ا ار“ دکنا رہل ریوں :5 ادا ت پار سولوں ہل سی 
تق کی ال فی سکرادوترا مآسا کاو کی تصدیقی زور دتا سے اود الک جانب سے کک گے تلام رسولو ں کی ر الت م بیان 
لا ارتا ےہ الام کے بر خلاف دو ہے راہب کے مان الول کے ا ناوات ونظریا کو وھا ماس ےتوہ بات جا نے یس 
) 0007 اتی موفت تک نرہ بکا ود اور تاع رار ا چ وکا جب گے ووا کی کے ماسوازوسرے 
راہب کے انار و اصورات ت یادوں کو کل ی مار ےکر و سے اور د ور ے ر ولول ویرول e‏ ھرے سے اقا رن . 


۱ 20 ار ايء وی رت مش ی شک کے کہ ۳۴ھ شک بل ہر 


ما رن جرد م >٦ ۲ --. ٰ fe‏ چنراہل 


ےط اوت ظر تج ٌوص رہ وت ھی رسول ا 
گی جانب سے کاو کی رایت کے ےآ کے ان می یم کی رق کی جا کی النکی لائی مول رعو ںکو ا ےا ہے ز مات کے ے 
تاور وجب سی انا جا ےگ ود اپ نی کو حرا راتت نہ شور با کک مال راہب م کول پان نی نی ہے 
سب | ایک ھی صداق ت کی کڑیاں یں نیو ا سے ما والوں ودار ورپ آگا/ردجاڑے کہ ائیانکیھیل جب نیا ہوک )کہ دوسر ےآحالی 
زا بک تمرلق ینگ کی جائے اور سا بقہخا ااءکی صداق اناب ےہ ْ 
کی حدی ے ے جات گی دامح مو کہاگ رکو مہو رک باتعا ائیمان لے اور رسول اکرم پڑت ےت ۓے 
٣‏ اقرا رککرے۔ کو ا سے کی ب لا ہوا اکا پہلا یمان رایگاں یں جاک کاک وہ ای پر اج ولواب نان قرارویا جا گایکن دہ تیر ٣‏ 
اسلام پک اا اتان نمی سکرما ارآ پک لال بول شرت پر اما یں لاا تود صرف بے کہ دغرو کار بتار دای 
ڑا بکامستوج بکگردانا ھا ےکا اکا اس یړ لایاہوا اجان ۰07ھ رچھاجا ےگا اور ای مکی اسم ولواب 
اتقات ہیا وکاک جس طرح تاماغیپ اییان لا اور ا نک رسال تک ترا کرنالازم ےدک طرر گل اور پروی بر 
: ا لا پل ک ریت پ ضرکی ہے اور ار تات مرف اسلا مکی ا طاعحتدفراتہردارکی ے- 
E‏ اود 2 ك در ری ت ی ر ی رس ر ۱ 
حیثیت س بے شرو رک چک ودا سپچ ماف کک اطا عت و فان دا یکرے اور اس کے اک مکی پر یری ی لکرے بک امراق 
ف رر گی ےک وہ اتک وآقا کے عات شرو شوق ارا یش ی raa‏ ہگرے ار اغلام جب اخ اتا 
تقو کی ری کہ اش ت کرت سے اور تقو کی اوی کے تام تھا ور ےکرتا سے اور اس کے ساتھ ساتھ و ا ہے نیا ور 
رو گر الہ رپ الان کے ا جکا مکی ہیا آ وی کال پرسے تون کے سا ھکرتاے اور ال کے ائ کے ہوئے تام رک کیل 
شک یس کیکوتایٹوی سکر تا تودود ہر ہے !رکا ا مختقاق زی اکرلیاے_ : 
۱ ابد دک یا اش شتو ا یکو کی وو ہے ا۴ ںا بنا قراردیاگیا ےک او یتو اک نے ایک تر کو دکیاجونہ صرف ےک 
اانیت اور فط رت کے انار کے تقاض او یی اکر ہے بک اسلا اخلاق کےا اصول وید یگ کر بھی ہے ر و ےپ کی ای ٠‏ 
۱ ئیکو ارک کے او راس سے اکر کے اکر نے اشا در دک اسای مسماوأت؛ اوریاند اخلائ یکا اس طرع اع شوت اک 
7 کا ورت کو ہو سای عیشت یلست سے اک یں :ےو فصت اورز زل ین نا رمتا ور زار یو شاوی ا راڈ لیر _ 
۱ رولت سے نواگر و نکی اعت اور سو اتی و اشر ہک شریف مکو کو رول کے برا ری لک کیا اس طرع ا نے اکر ویک طزف 
انسانیت اور اغلا کے تنا کو اور کیا ٹور وس ری طرف اسای انی مک یروخ کو بھی ا جاک رکیا لس اس کے اس ایارک بنء پر ریت نے 
1 یکو یادوہرے اترکا مات عطاکیا۔ 
شن عدا زف ث رہل نے اس عدی کی وضاضن کرت کے دو ہرے اج ر کے ہار ے بی ںکلھاے کے لن لوگویں کے 
تا مال شس جڑاء او روا کیا د ووی اضافت اس س مرک اکان کو یرل پر درون کے قال می دو پرا لواب ےرگ ع ار 
کیل وو را شس راز زستاے. روز رتا ےی کر اورک رتا ے توا کی کو مو بثارت کے تحت یں واب ین بین کی 11 
: تو کر توانر ات لي ا ںات کن 


کار ےجیک f‏ 


© زع ابی غمر انان رشو ل الله صَلی للهُعَلَيِْ رَملَم موث أن اقاي الئاس حى يشهدۆ لرل ال e‏ 
وَأَنمُحَمُدا سو الله ويوا سی وف فَعَلوْا ِكعَضمٰوایٰ جو تیر نم 


خیچ کے ۱ ۱ ۳ ۱ ای ۱ 


الاسلاع و جنا على اللہ متف علیو ا اََمْسمالَبَلٹر بحق الاسلام۔ 
اور ضرت !بن کر راو چ ں کے فیک کم ا یدالو O‏ ۱ 

ای دت کی جک کروں جب ت کہ وہ اس جا تک آواتک تہ رے دی کے انل کے سواکوئی موو یس اور مجر( کیا الد کے (ییے 

ہے ر سول ہیں تراز شی اور زکو ری او رپ رجنب وہای )کر ےآ تو انہوں نے ای چان دا لکوجھ سے الیل بال جو از بر 

۵0 .:. ایر کیا کے ھد ان کے ت کا معلہ اب کے سپ رہ (و جا ےگ ان کا سام دق ول 

حر سس رے ہج انارک مرک رایت مل 0 ' کے الما ایس 
و 
نتر را ٥‏ ‪-صجًْ٘ٛە+ك+ - ج 
وا کی اک کو تل مک کے ا کے تو نکی چو کرت ہے اس کے ام ابد از کر ہے۱ ای کے اتارے ہوئے تتام و ۱ 
ش ریت کے کت رن ر یگ راراے اور س کے کے ہو ئے رسول دوش کی طاععت وفریاتیر ار کا ےا ی ونیا س رو ںکی ہش ) 
ىا صلی متصدردئے زین تی شہنشاواو حم ملق ری تال اانا زگ ناہوتاے کان مضہ ہوا ےک ود ری دشر تکی 
سورت مک جا ایال تو ون ےکم رآ ےا الور تار ا من دائروشش لان ےکور اپرک 
کک کرسے اور ای با تک وای بنا ےک ا کا اس یہد اورک کے تھ شل جوماشروہ نکیا ہچ اک پر ونیا کک نتر وی ردا و 
اٹول او ری نمی وکرو یبالاۂ یک کر ھام ہوبے پا ےب صر ففرا کر ا خ یی دن وش ریچ تک موصت ہو وو یچ کسی ٣‏ 
کو کی با تکیاجازت ن وک دو وین دش ریت کان و عاتب یکر اس مواشرہ(اسلایریاست ہس رہ کے جو لوگ دو ری ختیار 
کر اور خدائی را لول کے کٹ آ نے سے مر ہوں ان کے خلاف وت ی کاردا کی جائے ج وی ؟ بھی فی اشرو میس مین و لوست کے 
اغیوں کے خلاف مول ے٠‏ اک قق تک وآنحضرت کے اکس خدریث مس بیالن رای کہ کے اید تیا نے ےم دا کہ مل رای 
صر ل اغیوں او رد وش رات کے شتو کے فلاف ١ل‏ وقت کب جب جار رکھوں جب تک وہای سی ارد ویکوٹ یکر کے 
۱ مارے محاشر نی( سلائی یا ست )یں ر ہے کے صوق حخاصل کر یں اور ای یہ قوق لک ای تویچی صو رت کہ ہقرو غاد 
ےجا امان و اعلام ایا رک میں“ ی سرت ول ے ای بات کا اقرار ادرڑبائنع سے اظ ہما رک ری کے ال کے سو الو مع کک“ 
مج( کی ) ار کے رسو میس : پھر ا ۓ گل ے تکرب ال کا یہ اقرار اور زان سے انمہار خصانہ ج“ شی اللہ اور ال کے 
رول 6 کیرک حصو اپار لے ناز ے کیہ :رو اوک ری اور دو سے فا ٣,‏ وو وک 
وس کائوکر ا مر یٹ مس تین ے کن , دسرے 2 ا کے ل رو و ات رم ر می نآ 
٣‏ چا ےکر اسلائ رست م ابی وطنیت اور پوو پٹ کوب رکا چاتے ہیں توان کے لے ضرو رک س ہک دہ وی وف کی ود رن ہب یکر 
اک و مواشرل فور اسلاگاءیا پات کے الع ر ار اور ا ایند باشترہ رہ کا ارا رارک ري سی مامت ام من ای باندکی سے ادا 
ے کو اصطاح یس ”جز کہا جات ےا سخ 0 پات کا کی عنم کے رام نان اک اور شی موق کے 
وناک بات ے۔ اگ کوٹ فیس جزیہ نہ دنا چا ےو ا ںکاقیادل یہ جک وہ اٹ کومیت و مقلومیت کا اقرا کر ک ےکی تیا موایدہ 
کے Weza‏ س دراک اعلارا ست یس رہے؛اسلائیقالون اپ عو رم وک اياي 
۱ سس کے جان دال اور ھت کے تفناکی ذشہ داری نے ےکا 

رال حررثش سے معلوم ہوا کیہ جو تس ایمان و اسلام کے وائرہ ‏ راغلی ہو چاتے پا جڑیے اد اکر کے او راد ےکر اسای . 

ریاست کا ہاشندرہ ہو 1 نس پ ‏ ]2 ست کے اوی توا اورریا e‏ مت 


تار جرد ۱ ) ۰۳ ۱ ' ۱ لر اڌل 


ٰ و کے ام نال جھرٹیور تی زی ETT‏ رو لس 

صلی ہے ان بعال شش مواغیذہہوگاخواہ نکاس ر تح کوٹ امان ہو یاز یکا اس معا میں ۶۶8ھ چم وی پ9 
مر شل مرکو" مان اڑل اھکونا ات قح لکرد چا ے تو ا ںکو قاس ( سز۱ میس ل کر واچ ےک لے یری زا ا مر ےا وای ر 
ْ 0ص 0“ و ری سزدی جائ ےکی اک ےک کال زی دی بی کر لیا تو ای سے ا یکیال باک کو لی دلا 
حا گا وا انون عملدارکی ج مال م 5ا مکی جا کے یدش گی فلاف ورز یکر ےگا ال وضو زادگ جا ےکی لاک رق ) 
اورا کے فقا کے معا یش سی یجس اوررعا یت کاسوال پرا ی ہوگا۔ 

یی کے آرم ان باتک طرف بیو شیا کرو اہ اک رتا قفون ےکن ںام ری جت ر رفا ے اورا انی 
حا تکو الہ کے بور رتا ج یاو تش جانا ما لک تالت کی کت رطا سلا ن بن ماتا ے او رول سکفرونفاق 
سےتواسلائی اون ا کو لدان تی لی کر ےگا لکاموالہ بل کے رور سگ کرای اس کے ول ںکھوت ہوگاتوآخرت میس 
ا نوا کی زا یل ےکی وبا واخ راون رک ے د € کک 
تک ہے ریت ای مل کی کی لک لیروں پور زن و ںآ و لک اق ےن کر کول وزرا اکر ےکہ م انارو 

زر ق ےت ہک رتاو ںتو ا لک توب قو لکرکے ا کی ان لے سے اتا کیا جا گھا۔ 7 

دریے اس مل مل متمدد الال ں٠‏ ان شی سے ظاہرتر قول ی ےک ار رک اص نے ایا کا اظمارکیا اور یبال سے ام الفاظ 
گان جن نے | سا مک نیا اور ششک وکن رونا معوم 90ص وس۷" 
ںی وہ تول ہوگاودگر کیو ہتس جان ہا کے سے اور سان مزا سے چ کے و کر ل ۱ 
سی ا ےکی۔ ` 


ران کون ے؟ ٰ 


0 اس أله قان قان زشؤل الله صلی الله علیہ سام من ضلى لوقا وسقي لور تا ۱ 

ALIS تا‎ N ERGO سو‎ 

اور حضرت ا“ 5 سے ا ہت سے اوس ارک ضر یاز ہے ہھارے تر لڑے E‏ 

A‏ ن ہے اور اللہ اور اللہ گے رسوا بب کا ہد اگ 

مات مرن م تکرو۔* تارق 

| تح :ال بیان گر مقر ی ےکی ای ررد ل کیت او ری مت ےجس تلق د نے بے اکا 
طخ اقار “رج زان ہے تق سےگرد ہبی الک کی ہے زا وذزریوں مج سکھطاہوا یاز ان کے غل رہ لر وشعا ری کے زرل ہو 
سکیا سے سای مواشرد جس راز ھن نا اور یت اہک طرف م کر کے پار تک رنا ال تاب کے مقاب ہے سب سے زیادوا ایال 
ہے ای رح موا شرن فا ہے سس یل وو رط رچ یں اع کی سل انوں ےکملا ہوا ار زکرتے وا کازج جم ار یالوک 
از کاو اگوشت اٹ لک ب نمی سکھاتے ے زا اس عر یٹ ںا کیا ےک اک رعہادات یل وجار ی طرح تقبل ہکی طرف ر کر 
نیس اور مار پا سے وگ !قاقر ب ہا کہ مارے ات کا زی کیا ے ھتوی اس با تک لی مو شہارت ہو کہ دہ را 7 
دن لورے“ بن کے اھر ہو لک ر کے ہیں اور امان :ان کے فلا فک کہ انیوں تک * کیا سے س کا ہار صرف ےک زات ے کہ 
۱ انآو بسلاو کوپ کسام پور طرح دا لہ گے یں کامطلب یچک اش اور 


yy‏ ا بای 
الد کے رول کے سیا تھ ا کا عرو اقرا TET FTI TTT‏ ا ) 
ہے ای لے االو ںکو جیا ےک ان کے اک 7ت مکی اذہ گی بابرا لوک ےک رس۰ : لہ ال کو اش ؛ کیب وس اور نہ الع کے 


) ھ و7۸ یکس سے ال ناس سی کاو فوا ياد می دا وہ ان کے سا مھ کی کرک یسلو‎ ۵٣ 
022 ور شتت ای کے ولو ےار 1 کہا ی یک ۱ رام اش پیر الکو کے سر‎ 


ج لے جانے راے اکال _ 


رئا هزور آئی اغزای الب صلی الله عَليه وَسَلَمَكقَاَ لن على عمل اد عَمَلمة ذل ال 
فقال تعب الل اشر ك به شيا يم اللو المَکونة وى الزكوة الْمَْروَضَة وَتَضْوْمُ زمضان قال الى 
) فی بد لزيد عَلی هذا هَين ولا انض مِنْهفَلمَ وَلى قَالَ ان صلی الله عليه وسلج هن سره أن بطر إلى 
لهل الجَنَةفلينظزالى هدا TSE‏ ) 
“اور حشرت الور راوگ میں 227 پل کی غیرصت می عاض ہوا اور ۶ شک رسول اکر ی گل ج 
چک ٹس ک ےکر نے سے میں جقت یس رال ہوججاؤوں اپ ڈو نے فیا ”ول کی یار تک ود یکو ا کا شریک :گھب راو فرش 
از عو زا 8 اک رو اور رشان کے روز ے رکو روا ازات سی کے تم یس یری ان سے میں :تو 
ویار 009 .بک کرو ںاہ جب وہ رمیا ای تو 061 نے فرایا جو کیک و یکو ری 
کا سارت او ر سرت ھل راچا ے وا کا سکو کہ نے ن کاری] 
شر :پال ے اشا ل سداہوسلما ےک رآپ کو ایاگ قرات سے خی گر شر کوک خی کیا لک 
برشاو ٹن کے ج 2 یس واشل موتا کن ہے ؟ اک یکاجواب پ ےکلہ اول آووەر یال ی لان ہوگاجوا یمان لان کے بعر جت 


2 میس اح لکرنے وا سال سکیم واک تار مر سی شش تالا پاد 


اس کے بی جقت م شول ی تن نہیں اس لے شہا جن کے وک کی ضرورت نہیں کیا 

ھال صرف ان ر ص زر کے کے ہیں: تی فک سک کر EET‏ یا ےو لکت ا 
وقت تک کی تن چس ف ہولی جہو ںکی اور بق ف RL‏ اداو رک نکر ےکاعیدور تقیقت ال 
وییا کے قاری ٣‏ اور کی تمر کے مضبوط وسن یدیل تھا ہوا ا ال کاخطلب۔ تما میرے رل تایان و الا گی لت 
اا د و کے امام د فا نکی جا آورکیکاداعیہ اک موی اور سی کے ا ےکی تو 
یں سوال ی مکی نیاوی کی عاجت ہے اورت جوا بک انعیت وھاسییت اور ا کی ایت کی کمک کیک رواوار چ اچاچ ال : 

دا کے شی نکی ا یکیفیت اور ا کا ایی وگروررکی اور اطم غیت کے میں ای کے اکچ اطا کو وک ھکر لمال نبوت 
نے ہ مخ ؛نسا نک تق ہون ےکیابشارت سنا اور لان فا ال فی سکوتمتا رک ںآ و یکو و کے وو رک CESK‏ 

۱ ا کے 


اماك کال 


© وَعَنْ سُفَيا نب غبداللہ انف قال قيار ۴ ہے من یی 
روَايَةغَيركقاز قل امَلث بالله ثوٌاسْتَقن۔(۷ہم) 


pp ْ e‏ ` ۱ کک لړ ال 


”اور حطر سفیان FE‏ کے می بکہ می نے رول رم چ ا ٹیس عرش کیا یار ول ای اج کو سل مکی 
کوٹی ایی بات ادج ےک ہآپ کے بعد ر ہک ر کرد رے سے پوپ ےکی ضرورت باق نہر ہے اور ایک ردا یت کے انظ یط یں 
سا ب E‏ کے علاوہکیادوسرکے سے لو کی عاجست نہ رچ" آپ ا سے ج رت 30.27 
اللہ انما لای اور ال ا کرای و اقرا ر ار ہو۔ جس ۱ 
شش ج شر رج ی کہ اللدکی دعدائیت اوز ا کیالوہی تک اگوی وو اود ا کی ذات او رام قات ر صرق 
رل سے اختراف و اعلقا کے سا امان لیے اھان پار کی اقاوی صورت ے اور ا کی صورت ہے ےک اللہ تال نے انے 
رول ذراچہ جو شراجت اتارک ے ا کی صداقت و انیت یں کا ل لین رکو اور ا کو تیو لک ر کے اکا رسو لک اعطاعت و 
ارد یکر وہاللراوراللکارعول ن ےکرن ےمد ا کک لکرداورجس تج ےکی ال سے رک جائ حر ےک قاد 
۱ وفع تکول ری دای تو وگ ان پر ی کے سا تھا ددم رہد انی کے کیل لان سےا حروف د و- 
| سر راش سام 
0 وَعَن فَلحَاُبن يد ال قال ءزجل إلى زشزل الله صلی ال عليه وسم من اها ذ نداب رالزاس نمع 
قوی ته ولا نعف اقۇل حى ذَاِن رز الله ضلی الد لعل ولم فاۋاھۇينال ن الالام فقال زسشؤل 
اللَوصّلی اللَةْعَلبه وسم مش س صَلوَاټ فی الوم واللْلة فان هَل عَلَیٌ يرهن فقا لا إل ن تَظوع قان زشزل 
اللو صلی الله عليه وَسَلم وَصِيَام شهر عصان فغا هَل عَلیٌ غَبرة قان لا ! الا أن تع قال وکر لہ زول الله 
صلی الله عليه صلم الزكوة فال هَل عاي غبرهافقال إا َنْتظۇعقان قَأَذْر الرَجْل وَهُوتَفْزل الله لا رند 
خَلٰىهٰذاوَلا انق مِلۂفقال سول اللهِصّلی اللهعَليه وَسّلمَاَفْنحَالڑ جل ان دق نع | 
”اور حطر ت ف بن تیر ار قرا سے یں :ل ر یں سے ایک ا کرم کا گی رمت ات ری یل اضر ہو یں کے م کے نال 
ریا ےی ادا زک ناف تر کن رہے ے لیکن (فاصلہ یر دن ےکاد ہہ ے )دش نی آد ا اک دہ آپ اٹ گیا 
کمہراے۔ یہاں تح کہ ووز سول اتر چا ےک ترب کیا توم نے ست اک وہ اعلام کے فر اش کے ہار ہشیش سوالا تکرر 
ہے رسول اللہ پل نے ای کے جواب میں) را ”رات و نکی پا فہارں رفش ) ہیں" (یہ یک ای ن کہا گیا ان ٠‏ 
مزوں کے سوابھ یراو تما بھی ق ہی 'آپ نے قرا !کرش ناز ی یس ھن کا خی ہے ' “رر سول الد پت ٣‏ 
نے فرمایا وریہ رشان کے روڑے ق )میں "ساس ھی ےک با الت زول کے سوا یھ اور روڑرے بج ف ہیں' تآب نے 
فا دیس انل روز ےم می اتا رہے '' راوگ کے ہی ںکہ رسول الد پا ےا کے بعد زک ۃ کا زک فرا اک نے کیا 
٣‏ کے لاود“ پ0 کے ړکو تیلہ شع تر زر نے مب mk‏ کا کی 72 ارش صد ا یں اخشمارے ٠"‏ ی کے روم 7ر 
ہوا لاگ اللہ خد ای ا تو ای رھ او کرو گا اورت ای سے پچ ھک یکرو ں ۴ رسول الل چٹ نے قرا ا را یخس ٰ 
ہے ےکا ےلو چات پیا ے او رکامیاب ہوگیا' - خارف ک 
تر :جیار لے لے ایک میت ی شن شزرا ران بھی کی کہا جا ےئ 21 ٹس وقت ال یں ےی ایا وفت تک 
ا داب د بل وکوا ا نے اک شل 


ہل آ بک یکفیت الو گھرے۔ 
ر سح مت رت ۱ 


م تیار ار. 0 ہے ۱ چلال 


زادگ او ری کر ےکاوعد کیا یا پھر ےکما جا سک سپ ہک ووت کی توم کا ارہ اور اہی ی کر اسلا مکی تییقت اور کش جا ن ےآ 
تھا کہ والپس چاکر ای قو مک وی لای لیات اورفو ے آگادکرے کے ال نے وای کے وق کہ کہ مہ وئیں اس میں 
رن و و یں سی آب کت دس سی رس یت ۱ 
شتوو طرف سکول زیاد یکرو گا اور کو یگھی۔ 


الام » س م ۱ 
(1۵) وَعَن ئن عباس فان افد دالس لا توا ایی صلی ال عه قان شور الله صلی اله ي 
کیو نت وی ہد مرا بالقزم آؤ ہالوفد غير رانا وا نامي قَالزا يا زسؤن الله إن لا 
بطب | ناك الآ فى اضر الْحرام وياو بك هذا لحي مِ نْکُفَارِفضَزَفَمزنابائر فطل نُخببەمن و ز ٤نا‏ 
وذح به الةو ماله غي الاشربة فامرهُم بازع وَنهَاهُمْعَنْ اژیع هرهم بالا یمان باللهِؤَخْنهُقان رونم ٣‏ 
یمان بالله وده قال الله وَزسْوْله غلم قار شهادَة ان :لا إله 1 الله محمد رَسُؤل الله وَِقاۂٔ الصّلوۃ 
ايتا الركوةٍ و صِيَاةٌ و قضان ون تُغظؤا من الم الحم ولاهم عن ازع عن الْحَلئم والدباء والٹفٹر 
والمُرفتۇقان اخفْلوَهٰنَ واخبززؤا بهِ من ۇر :ٹاک نے فط قار ا 
اور حرج این یا ی ا یا کر تے ہی ںکہ جب وقر یاس یکرم کو ۲ اغد مت ال ری ےر پنیا تورسول الد کا E‏ 
ارما کون لوک ں یالوں یاک نس تی ہکاوہ ے؟(راو کش ک واک آپ 8 نے یہاں :تو مکالفط ایا فرکاالوگوں نے 
جواپ واک ”قیلہ ریہ کے افراد ہیں“ آپ کا نے نرا خو لآ سو ی ور چوک مارک ٹوڑگی ہے لدان ہوک آے ای ےہ ونا 
کن مسا ری ےر وا ے اور آرت 9 1 ., :ارول الد اچ مارے او رآپ گا کے درمیان ۱ 
نار مض ** کا( شو رجف جو تیل ےا ایت مآ پک ترت میں جل ر جلد هاضر یں توح صرف ان ہیں شآ کح ہیں جن 
ٹن لزنام ے لذب کے ا ے١‏ یے اا س عطافیاو کے ن ےتور ھی نکر وور بن 
لوو کو ی ماس نے کروی ج۲ نکو سے کے ز وترم ش٣‏ چھوثآئے ہیں اور اس پگ لکر نے سے ھم چت شس اہ 
0,0 بھی و ( جن یس زیا ماف تک کون سے استعال یس لا ئے جا سک ہیں٠‏ ۱ 
اد رکوع سے ہیں آپ ہہ ےا نکو جار قو ں انم ۳ اول اللہ تھا ی و ع ایت پر ایمان لان کا اگ اور 
ایا جات ہو الک وعدائیت بے ایبان لانے کے مطلب کیاہے؟ انہوں نے وش کیا اللہ اور اکا رسول کی ٹوب ا سے ہیں 
آب کا نے فرایا: اش ی دعدانیت ر ان لاا) ا تیش کی شبات دتا ےکہ ار کے سو الو جور شس اور مھ چان اش کے 
رسو ہیں پاب ری سے تما ز تا رة یناہ اوہ اہ رمضالن کے روز نے راان پار ہاتوں کے علاو بعد شس آپ چا نبال قم 
سس سےا با کوک من کے در تی ےکا ام کرای اور ان پار بر ٹوں کے امتقال ےم فیا و “لو کے لوول ے٠‏ 
ررق تک کرک ج اول ے بائ ہو تنوں ےہ رال کے ہوئے بر تخوں س٠‏ اور ھرایا :ان تو ںکو بھی طرح پا وکر لو اور جن 
مسلرانو ںکو ا ہے کے ون ) ڑا کے ہو اکر کیان پاتوں سےآگاوگمردو۔ (چخا ری الات بارئی کے ہیں 
) شر :ر مک آواز چ بک اور ےی اجار راو ارہل ہے کل کر دوسرے علاقوں شش پر لف مامات کے ٹیلوں اورتوموں 
کےا فراد وق ر کی کل میس اسل ی تل ہا تکی حفیقت او رق راسلام ا کی و کوت کی مراک تاو جاںۓ او رجگ کے لے درباررسمالت . 
رر رر سر ھکوس سر سر رس E EE TTI‏ 


ا ہو ٰ 0 ۱ ہر 
حاشرہونے کے بے وفوددٹی نقلیمات اور اسلائ فر لکن یرم ایا سے مال کے اور اپنے علاقں او یلو موا جا 
کم اسلا ی کر تے۔ 

ا کے ی0 ی 
لا قوں زور شلوں“ تک پنیا ےکاڈ ریہ ے؛اییائی ایک وڈ ری لیس ےآ سم کر اکس مدت لکیاجاریاے۔ غ ا سر 
راہ وڈ رکا نام ا ا ا ا و و ا ا ا ا ا ا لا کی خر مت یش دو رجہ حاضر 
:ےک رت کہ سے کی ۵ے ال رقت ا نلظر: ز٣‏ یا۸ eR‏ ضا کی کس نکی 
ودورہے جس کے قیلہکی سوب می اسلاممیش کروی کے بعد سب سے پل ہل مواہے چنا قا ریک رایت ے: 


اون سوممس وی ھی لله صلی الله عليه وسلم فی مسجد عبدالقیس بجو ل ی من 
البحرين- ٠.‏ 
نیدی یوز a‏ ایک رش نیا ری 997 
ال وق ر یآ کے ساسلہ یں ہے ستول ےک نک نآ خضرت بی نے اۓ یا نے مایا شی اگ ہار ے ای ! کاب 
٣‏ الہ آنے وا لا سے وا شرن شل سب سے ہے خضرت کہ کیرک کے کے ہت ےو نیل یرہ ہوم سوا یکا اک ال 
امابوا نظ رخ جال ہے سب اکا و عضرت گر کے ا کو حضرت پٹ کی شارت سنا اورقافلہ کے ساتھ اتد درا رر مانت میں 
حعاضرہوئ: انل تاغل کی نظرجو ںپی رو ے الور کا مھ گی کے سب بل ان ات ھک کی طرف دوز ہے او رف اشتیق 
ے اما چنا مابات اک طرح پو کر راواۓ وا ر آب ٹپ کی خرعمت* ں عاض رم وگ رآپ ê‏ کے ست میا رک ہو نے گے ضرت 
ع رالاس جو امرقائلہ ے ارولو ن سے کے رہ کے ے ہوا ئے لے سب کے اونٹ ند ے 4 نای کول ر 
کے کڑے اہارۓےاوردومر ڈیا شی کیا رکون وتار کے اھ آ اپ کف رت مس عاشرہوئے او آپ 4 و ست 
مار کول و وااو ی لیے جب ا حضرت کہ نے نکی طف ناما یتو ا نہوں نے عق سکیا یا رو لال١‏ دی یک عبت 
مرف ا کے ڈھا ئ سے تش ہوتی کا کی قردو تمت ال کے دوپچھوئ اعضاء جات ہیں درو فان ودل یں ٣ت‏ ا 
سرا یدو لیس ہیں ی کو ایرو رسو ل پٹ کرت ہیں کی دانائی اورب ردہاری۔انہوں نے عون کیا یر ول اا 0 میں 
میں پیا ی ہیں ی ؟آنحضت کڈ نے اپا“ 

ای کیہ کے ار ا زار مر کے تی کے اس ےکر اھ ٦٦ھ‏ 
ےک بہت زیادہ نک جو تھا ا کدی کے قرب سے ج وگ یکرت تھا ان سے جک ہوٹی ضرو ری ای لے ای وئر ےکہاچو 
جار ے لے عام رنوں میس آب بہت مکل ہے؛ اس ےہار اس سے صرف انی می میٹوں یآ کھت یں جو اب ملا ہے 
جات ںای ون کا ج چڑو کرای ری وہ جار ہیں: 
© اش اور ال کے سول بے ییات لانا - 0 کاک ل وین سے لسرت 
تج لیت ' کے الفاظ وک کے ہیں سک اف این تر نے شاو راریاے۔ 0 

الولو ںو ییک ع خوراش ابال غیت کا وال حض اد اکر ے اناور الاو 0-0002 ال 
ار کا چا رک اکر ےھ او رکا ر نے مقابل ہر گی کے می یس مال کب اک کے ے۔ 

ن ار ڑوں سے الن لوگو کون اجار برشن سے جن کے بست ال کان رنوں مانو ی اسل م ہے کو م کے برش 
۱ وی تھ و ا ب ککہاں شراب نے ور شراب رک کے ام آتے ےچک شراب تام ہورگ گے ان ں٠‏ 


7 


مظاہ را دی 5 ۱ لم ول 


کے اتیل ے یح فرماو کیا کیہ ای سے شر بک مو جو دی پاش ب کے تھا لکا شی ضہ ہو کے ہر چب بعد یں شرا ب رمت 
مسلرانوں کے ولوں میں کی کے را کے ج ون ان سار" یہ اال را سے ابت کے لے 
ee oh‏ 


TT‏ قابات الام 


© وَعن اة انام فا قال ر سۇ الله صلی الله عل ملم وول صابن ضخاہہ تایغؤین علي 
ن لانشرگۆاباللە ياولا تشرقزاۇل تزنۆاۇل تفلا دجو تانز هنان تفترۇ تن ادنخ ۇأزجلكم وي ۱ 
ضا فی مغززفِ فَمَنْ وفی منكم فَاجْرة على الله ومن صاب من ذلك سينا قر قب به فی الَا فهو و 
وَمَنْ اصاب م نت َال سترة لله يدهز لى لله ان سم غفا حا ان اء عابنا لى فلك 7 ۱ 
ےہ ) 
”اور تشرت ارونو ا کے ب کہ اتک دن رسول الہ گے 20 اکر ای ب کروی وی ھی 
رتخا طب لر کے )ایا بھی SE‏ کر وکہ دا ےہاک یکوشریک ٢‏ کے رت O‏ ) 
ئل ی کے ڈر ے اپے کو کوت کر کے جان پر ہک کپ پان ای کر ر کے اور شرب کے مطا تی س جو اکا دو ں کا 
ATU‏ ارو تم یش ے برس یدوا اروا کپ ےکا اس اج سم اہی پر 
بے نوائرے گا 1ور جوف (سوائے رک سے اث E n‏ او ھا کے اور چھردناٹش 0 نای زا EE‏ 
اجیسے مد تہ حا دی ہو تو ے مرا اس کے زاھ | نے ہے وو ےک ارز راڈ مال می من ار کا کر نے 
٠‏ وانے سک ےکنا وی : ال ساوت 27ل او اب ے خمداکی مرش خر وکاک چا ےتودد(انز ہک مآ ت می ںببھی 
رار زرا سے اور چا ا سے باب سے (راو مت ا اا بر طون بح آپ ہن سے جع تگی۔' ریلم 


عورتوں کے سے آپ i‏ اران 


09 وع نا معن لْغذْرِيَفلَعَرَجِزمزن الى الله عليو رسام فى خی وف إلی الْمْصلى فَمَرَعَلّى 
لاوقا ریفس السا ء تذفن فا ركن اکت ر آهل لن ہم نارشؤن الف نکنل ونکٹژن _ 
اشير ها رايت من اقضاتِ عَقلٍ ودنن اب لب لجل الْحازہ من حْداكيّقن ومالفُصان دزبنا و عفإتات 
رسن اللوقان الب شاد مرو يفل بب اة الرجل فانبل قال ذلك نفصان عقبهافا يس رن 
i‏ لولم تصمقلنبلىقاز قَذلِك م نَقَصان دبا نعي . 
”اور الوسحر در راوگ ہی ںکہ رسول الہ کا (ایک حرج اعید بات خی کی نماز کے ے ع رگا تشریف لات ےآ و عو رتو ں کی ۳ 
اعت کے پا تر جر جو را کے لے انگ ال کاو میں جح نیل اور اکونا طب کر کے ہا اے عو رتو ںکی 
ماع ٹا م سرک وت یرام تکھر وکوک یں ےم سے اک کو ووز ٭ یس وھا سے( نکر ان عو رآوں ا کہا با رسول اش ا ا کا 
بب ؟آ کرت E‏ نے فر حن وطعن یہ کرد اد اپنے شوبرو ںکوت را شکر یک رآ رہق ہو اور ےل ود یل 
ل ور ااا کی ھھا۔۔ می سے میں جو زعت علق اول وکا ہی شیک تے دن مز ےم تھے آپ نے ۲ے نبا لکی رار ۳ ۴ھٹ دفات پل ۔ 


س آپ کا اي م محر ت کک کن یانب ایرآ چک کیت چ اد درک بت ے مو ید جم ےد الک رہپ ۱ 
ب ال ہیں 


ا ای : ۱ ۱ 20 ) . ۱ جار ال ۱ 
س لے لے ہے _۔رمیمهسصمفضمصےےجےۓسس‪ےسگکک.ہسس‪سشگہحچحچہهجح ضس س ب جح ا تہ 


گند ہونے کے ہاو جور ہو شیا وکر سے وقوف تار نے ش تم سے ہگ رک کو نمی ھا نکر ہن غو رتوں نے کیا پار ول 
لس ما ری او تر لی ںی اک ے؟آپ ا 7 ان حور تک یگ وا: ہی آر لے رر 11 اوا کے مرا ا یک 
ِب 0 -ص' ووی ایک مر دگیگوای کے برا کی اا ے )اہول کہا کال ایا ی ے٠‏ اب کا نے 
فرای۔ ا کی وج ورس تک لک کرو ری س او رکا ایی ےگ ہل وقت عورت تین کی جات میں ہو ےتومہ ازع ے اوز 
روز ے٢‏ نہوں تن اک مال اس ایا ےج آپ BETE Ê‏ کے ر شی فنقعصا نکیاو نہ ے۔' ار ب 
شر :لام کے اجن رای زا شس عورتیں بھی مردوں کے اھ ہی سیل نمازاد اکر یں 1س ے یاب ری کی از کے لے 
بھی عورجین عی اہ ئ گی اور وتک وہ الک ای کسکوہمی کی ہو یں اور خل یہک آوازان کیک نیس یی یع 
اکم ادروئ ضردریا تک بای ان تک جال ایی ا پآ ضرت یا ان کے پا تریف سے کے اوران لووعتاو “ 
شرف فاا . 
اک عو رآو ںک عادت ہو ےک جہاں ایگ دوش کر یں 200707 شع ہیں چی یس پیک دوسرےکوفیت 
کر ا وشن وع نکی لو ھا کر شرو اکر رک ہیں اد برا نکازیاد وت وقت ان تر افا ہاآوں سکزرما 


٦ہ‏ ہے۔ اک طرحع یہ ڈراو بھی ان عوقو مل پا جا تا کہ ا کاش و را نک یآ ان اور ان کے راضنت وآرا م کے ےک یپ 


لے سی ی شات و حت کے النکی ضروریا تک کی لکر سے ۔ اور ا خو رکٹ کے یی یں !ھا نتر ان کزان 
سے ھی بھی شو مرو ں۴ ر وو نیلم ب پیش اک ری بی کے الفاط ان کزان سے کے ہیں ری شو چ و ںک نافرہا یک با تتوے رل 
بھی عو رتوں میس پش کم نیس ہے ظا ےک یہ ہام ا عو رتوں کے ایک بہت از ے عیب کی ناز یگ کی ہیں نس سے ا نک آرت 
تاد ہوٹی ے اور جو ال کو ال کے ڑا ب کا سٹو جب بے ای لئے یکر ہا نے الن کے اس تاط۱ خی بک شان ری فر ال اور 
س جم کسر کک سی د گناہ یں ش نکی وجہ سے اٹ کاع زاب یہ ہوا ادر خر 
را یری ل 6 ۶ھ ین دی اور ہار ی ان ی پاتوں کے سب دو زج می ش٣ ٠,۶‏ رتو کی یداو مردو کی کیج 
زیرد موه ازام دق و ترات کر رہاگکرو اللہ ای طرف تو ا سکیا برکنت ہے تھہار کے اثر ان او ں کی ۲ ا اورے گیب چاتا 
رج دو ر فاش کر مت ما ری طف موجہ ہو اوار مار ےکنا ہی ںی بش ¥ 

ن( کیج ںہ ال دکی رحمت سے وو کرنا ا کے ات 0 ی راش کی رم انال برک کے ے 
ا شر کا س ےک کی ت اوت نکر کے اک نت کی جائے چاچ وکوا ہو یشون فی بھی لعنت کی ْ 
عمائعت اس بای ہ کے یی امک کک ا کو ائمان و اسلا مک یت ون مو چا ووردہکنفروش رر کی لعنت سے کل کر اد ہکیا وت 
٣‏ کے سای مم سآ جیائے۔ اں جوش صقر جالت شی مرکیاہو اور ال کاکفری مر نی طور یر معلوم پوآو ال لضت بھی سا پک ے بی 
مر نخس برائی برلعنت یی ہیں ا اتا اتب فون اشا 

عو رلون میں پت لی اگیا''یا ال کے ”ری سای“ کا اطبار کو رلوں 7۳ نت کے لے ہز یس سے ب رت کےا کل رین 
گی طرف شار وکرنے کے لے ہے جومردوں اور عورآوں کے ورمیان ما وی فرق فی تک یار سے اور فرقی صتفیت درل ۱ 
نطرت کا تاضاے ؟ جس کے انی نوع انان کاذاٹی ومحاشرگی نظام ند بر سراعتدال نیس رو سکع ؛ غا کات نے جسمالی EE‏ 
۱ اور رک ورپ مر 7 گور تک ہہ بت چو ررر رچ دیاے اور اوت کیا ع ریف سے واج ےوہ ان لی وار کے اتال وتوازن ۱ 
) ک رارک کے لے ہے ھک شرف ضائی تم کی کے ظا لے ا شرف مد ورت دوو یں مت ہے ۱ 

اوردولوں اوک درج رتیل ۔ : 


۱ ما کی ری ۰ ۰ ۱ ٦‏ لم اأ 


انان 7 مرخ نب رق 
0 ین هرقا قال سول الله صلی الل عله وسم قال له الى لین تكله ذلك 
وَشََمیی ولیک نله ذز ك فاا تکرب به ای فقو هَن ينی كَمَابدأن ولس َون الْخَليٍ َوَن عل معاد 
اما شْتْفۂ اي فقول تخد اللهُوََنا.. i...‏ لَحۂ الصَمَد ىلم الد وم اوذ ولم يكن لى كُفوأًاحَد وفن 
ْ رواية ابن عباس وما شْم يائ لى ولد خان ن أتخذصَاجبَة ولا راه انارق کت 
”اور شرت ال ہریڈ کے ہی ںکمہ رسول اللہ ٹن نے ہا الہ تا ی قرباجا ‏ ےک ای نآدم(ا نان جک ھک وشلا ا بے اور ے بات انس کے 
شای ٹیٹس اد رمیرے بارے ںی کوک رتاس الاک یہ ال کے ماس ب نیس سے ءا کاب کو ھللا نا تو ےک د ہکا ے ٹیس رح 
اللہ سے ب کول وا یی مرت ہر کیا ے ای رح دہ آخرت شیک کو ۃوبار ہہ گت ید ایی کر سکم الاک دوبار ہ اکر نان 
ریہ ہیاک ہے کے مطابلہ میس شک یس سے۔ اور ام ئکامیرے پارے میس برو یکنا ل و ےلت ہے ااا بے 
الال ی٠س‏ نتم اور ے از ہوں؛ شی نک کو جناے اور تل دک کی نے جا اور نہ گر عیبر ہس ہے اور وین عا می کم داضت می 
ای مرح ہے ”اور اک (ا نما )کا شک برا چھلاکونا نیہ ےکی وہک جس ہج سج پا ہو الہ کو یدک ا 
7 ۱ ۱ 
:جاک ےک ہی ںکہ یام ت فی سآ ےکی او مک یں جک ایک رت درا ہوک مرجاتے والوں اوا رتا ے انار جرد 
١‏ مخ کرد دلو لکد رہ حیات نے اور دنا رت کے لے نکد وہل ںآ ے یا اکر ولرک ال ای کے گے 
نیا اب تکر ت ہیس اور اس کاخقی و کت میس کے بی انیو ںاہ ناک حفر شی علیہ السلا م ایر کے یٹ تی اودلو ںکاکہ ناک 
غرم علیہ اسم ایی کی اولاد ہی٠‏ ور مقیقت اکر و ید دک سے راو روک ی ا بللہ کہ تال کی طرف موک نی تک را اور ا لی 
۱ زات پر لن باندھنا ہے۔ موت ف نہ ت تو اک اپارس ےک الل توا نے ایگ اہول اور اتے جج نبروں کے زرد امت : 
وا ?رر لے اور ایاے ےل چرڈگادوںع ومر ہے اود پرا ارت کل د ویار زرهپ وکر ال اتا ااا ارو 
تتم اکا کرت ہے باحیات لور اوت تکوم اکن کی ہے لوو رل وہ ظا کر تی ےک( وؤپانشر) ال موا ے YES‏ 
پ نو کی ہیں7 وی ے اکا ںی اصسو رتا ر اوزنا اک وض ایک مر دا ہوک ریت وڈا ود وچا دورد ارو وجور شس ۱ 
ور تخت ای تحال کی صف تا رربت وتمالقی تکا اکا کنا ہے الن ثاوالو 9 فی یسپ موی بات ؟ یس اک یک چون ا کی وم 
سے کال مر وچو واا کي سس سنا سکم سے ود 9 رکو جن وہ ارک لوٹ کر اپ E‏ پکھ یہو دوباردقااب اورو جود یلا اول راء 
دولر رت رکے والا اتان ک یکی چو قت میس اگ رکو رتت وو کل عو کر ے لرل مت کی یق میس عر کے ) 
چ بک ای چ رودو ر ہیا اس کے لے چنداں کل یس وت را میرددطاقت وق ر ت رکٹ وانے خلا عا کرک تحلیق کے ٦‏ 
تیامرضرد کل را ت E,‏ پیل مرح > بور ووی مر رر کی رتیل ونان کے اپار ے ورش ٠‏ 
کھانے کے لے سے اس اتی تق ولا ذات سے ہیں سے ہو تاوا چک وپ کر ہی کے لئے کی مہ 
شل ے اور دوسری ر2 - ۱ 


ا ال کے پارے میس یراو کے ذ ری ا کی ذات ۳ بپتا ف9 7 81ت۸+9798۳) 
ت یر اور ٹ ےکٹو ے اور .2 دا کی جا اورا نے یکو ایر 7ل یکو ون کا نایا ا لک وک ابات جانا ا کذات ۱ 


ا سے ی انا کدی او ر وخا لکاکراو ٹک بات چک وہاپے غا اود اپ پور درک طرف 


ظامتا ہو ا oT:‏ " ۱ لہ اقل 
E TINE‏ بے میا ہے۔ ) ) 
ْ ۱ مت 


6 ان قران قان رمزن الله صلی اللعلیِ سلمف شیزی تئ اتيش نخر ا 
َدَیٌالْأَئرأقَلَب اليل وَالنَھَاز بو 

اور نرت الور کے ہی ںکہ رسول ار اتا سے ایک ال نای شرا ٣ے‏ ` ام ندم ((نسان )یش نیف را سے سے ای ح کیہ 7 

کہ دجن مات ہک برا کے ھا لا نیہ زیا( ین ود وش خی ہیں ATID‏ 


مر ےرت 7 6 ۱ 
شر : چاو ںکی مارت ےک وہ انسانو کی بی 7 ت 
وپ ر ہے ہیں اور ای زات سے اس طرح کے الفا کال نہیں * زات راپ ے بہت براوقت ے؟ سط رع اور انار 
نا نہایت فلا س کیک زان وو قت تو پک بھی ین ےہ اص مر ف ان تال زات ہے جس کے ینہ میس لد نہا رگ ررش 
ے اور گی 92 می ونار ام نماد اوروئتے؛| مس سے سش رت کے اس 
0 تاا لس ۱ ۱ 
ا تھا کاضر ین 


9 وغن ان وی لَنَْرِؾَ فا ان رول الله EE‏ شزغل اد نشمفڈیزاللہ 
يَذْعُ نه لولدم يغافتهم ويز فج نعي 
”اور خض رطا مکی شع یا کے ہیں کہ رسول نرا چ نے راا نیف دہ 029 تر وڈ 
نہیں وک کے ےی کے پال کیرات ے انام کیاکی ا نکوعافیت ظا اور رو زک کچ تا ہے۔ "رارک 
وص ۱ 
ار ۰ت تد ٣غ‏ سی لے ار کی ںہ پت ۱ 
کاصیاب ہو جا ئے ا A‏ نویس ا سک تمان پاتا چا ے ترا سے مان ٣‏ ھا ےا قے ان لے یہاں بی د جکھنا جا ہے کہ واک اس انان 
ے قول لے کی ف ہی ہے اوردو رد کرتاہے اور ال عدی ثہکامقصد اک با تکوظاہرکرتا ہے ۔ اص شا اال دل و 
وار ھو ڑا اور و شو رکو بیدا رک اس کہ جب الگا زی ال ول لوق اکاک برا کے ہہوئے انان اکیاکے نان قد رت 
سے م تقر ہو ے وا نے لوک ا تے قول و نل سے ا کو ا بایان کے سامان تا ارکر ہے ہیں ا کو نیف د ےکا ارادوک ر یں ٠‏ 
کے یفوک اس کے اجکام نہدایات اور انس کے ہکا اتی ااا اود ال کی طرف ان چڑو کی نہ تک رناجن سے ال کی ۱ 
زات لکش اک وو رزو ے لا یکو ا کا چا جانا یکو ا کاجوڑاقر ارد یا ویے ایی با یڑ ںک ی پر ا یکا فض | ارک رکا 
تونہ صرف ال ڑوں کم فظام زنر کی ت الاک کے رک دسے پاد لرک کات 1€ ھی عیست ونائودکر ڈانے بعر ای کے 
برواشت ک۴ ےید چ قررت رکینے کے بی ےکوی انا کاردا او انتا کیک رول رزگ یر ار یکوزنری 
کے وس اکر ور سے حدم بی سکرتا؛ جس علرع اکر کے نیک اور اطاعتہگز خر ے اس کیل وکر م کے سابہ یں انار ۱ 
پرکار اور رکش بندے بھی دوت ‏ ست سی فی سے ا اور ے و ۱ ٰ۱ 


“ار دی | سپ ٰ لہ ال 


ا ہیی یت سے 


توحیدکی ا ہت 


٦ر‏ و ۱ 
٣‏ عاذ هل تذری احق الله علي جاه وما حَق ابا عَلَى الله قب الله ورسْرَلَهَُعلمقَال قان حى الله على ْ 
۱ پمیر نوا سر سور سو رہ شال تْبازمزل زل اللہ افا 
بوبه اناس قال لان مَمْرَمُوفیٹکلڑا۔ خن مي ۱ ْ 
”اور حشرت جا کت ہی ںکمہ زوس مف رک ووز ران سوائرگیا کے )کے پیل ا خضرت نت کے کے ھا ہوا ياء رست اور 
نحضرت کا کے ورمیا نکیاڑے کال حت نل متھاء آحضور چ نے کے ہے ا طربایامعاذ اا وا 
E‏ رو الت اور ی کار سول کا ی ترجا نے اپ Ê‏ نے فبایا۔بندوں ن ال کا نیہ س ےک دہ ا کی پاد تےکر یی 
اور یکو ا کات رک ORE‏ کے می کو دوش یکر ا سے مزاب نہ د ہے (بیہ کیاکی یں 
نے مرف کی یارسول اللہ اہ مہ خو ری لو ںکوسنادوں٭ آب پا ہے ید وکو یش نویک و یا ہروس ہکر 
ٹیس کے(دو رف لک رنابچھوٹ دی کے )"جنار ی د ٰ 
ار بے ارم مرف یں ا کت رک 
وتمان کے جات تے اور ان سوا رگ کی جائیتی- 
۱ .ای صر ہگ سے لو ہو کی ی ست ال کو ایک ما نلیا الک الوست وریت اور ا لک گی ہوئی رمات چ ان لے آپااوز 
ا کی کیا وت ور“ کر کی نمی س ٹھب رای تو این یر اللکاغاب نمی ہوگائین ال گا“ بک اکر کیہ و 
ال کے ر سول بے بیان نے آیا ارغ رک کا رحب نمی ہوا اس م دوڈ رٹک کی اکل ترام ہو جاک ار رولت ای پر اور 
رکا ہو لہ ا کا ملین یہ س ےک مش کین او رکا رکی طرع اس پ پیش کے لے مزاب مقا راجا کے اورئہ ووئیٹہ تیک روز 
شر کبک اس ےگا ہو کی مزا پک رآ رکار جقت میل داش کر وچا ےگا۔ 
۱ دوز ٣ dÎ‏ 
6 وہ انس ا لت م لی الله عليه وم وَمَناڈووفۂعَلی اي قان ا ايك زشزن الله 
َسغدنك فان با معا فان بك ا شزن اسيك قال باقن ك ازمل الله وََعديِكَ تلف ) 
a‏ 8ئ8 سو و مر ا OE‏ ان 
8( کرت یت E‏ سی ۰ کے کے 
عار بے ہہوئے رای ”اسے معا" انہوں لن ےکھا”حاضرہوں پا ر سول ا ل ضور خا کے چ ر فر مایا بے ماز“ معا ڑے 
رکا ”یار سول اٹ حا رہوں *آپ ا نے کچھ یری ہے خاب را اے موا“ معازنۓ کہا ”یا ر سول الد عاضرہوں ' 
مضور چ اک مع ن م تیر موا کو قاط بکر نے کےربحد فرای ا کاچویئر کے ول سے اک با تکاگواہی و ےک اللہ کے 
e‏ 7 د ا اس سم دی اخ 


8 ۱ : کے ے : : 7 ۱ ۱ ۰ 

*ظاہرل جرر ۱ ۱ ۳ E‏ > ظلر اوا 
"٠‏ "رول ابل ا(8 اگ ٹس اس (خ نیہ سے لوو ں کو اکا ھکر ہوں ماک دہ اس پار کو کی کر خو باشل ؛ آپ E:‏ 

قرایاا نیس لوگ اک کرو کر یں کے “ری اس قرمائے ہی کے اخ رکار محا فک شاا 

ای دفات کے وقت ا حد یش کو پیا ن کر دیاتھا۔ ار 
اشر :نحضور کک نے مھا کو ہارباراسل کے مخاطب فرای امہ ان کے دل ورغ a‏ اوران 
) کہ جب تی وا دای ہے ودای یس ہ کہ سر سرک کو نل ائے کہا کی تفاضا کا کول رجہ سے سنا 
اس اوردل ودما کیو کی وی کوی ایا چا 


) 0 ۰90 


د ل ی وتم ن یت نر کے ان ات سز کےا کان 
7 تھا ے میں ال یکو بی لو را کیا جائئے “ شی وین شید تک اورک چیو یک جائے ادر احا قرات رک وفران رسو لک فراتیر وار کک چا سے 

ارا کن نر ریو بے ای طح دا کال وگرم دو نکی ڑگ سے توف کے ابی 
لے جب حضرت میا ے آنحضرت ‏ نات سے اس پشار تکوعام لوگوں بے کا جازت ای تراب پاٹ نے ی ہک کر 
ا یاکہ لگ ی وش یکو یکر اکا کرو کر یں کے اور لکنا وم وس ےج س کا لھ زاب غداوندگے یائچھروکیانا ون کی 
جائ ےکی پیلک کیہ عق آوحیز دات دوز کے اب گاعزاب سے نوا تکاضاک ہے سن نس مطر فا و مض ٹین دو نکی 
آل میں پیش ہش جلا کے جا این گے سی طر تو یدورسمالت ب امان رکٹ وااو ںکودوز نکی کک می س یغ کے ے میس ڈالا ہے ` 
کاش سے جی سے شپت پیک ا کیا وکا اورف اتکی( الکو اس عرصہ کے لے جرا چاے 
گدو شل ڈالا ا ےگا اورجب وہای رالود رل تت7 Ee aC APNE‏ 


ات بایان ئل فا 


تقر الائەت خلی لیت ناوات ری حرق نون ازى انسر بُ 
ان زی ون سَرق ىقالو وا نی وَاِنْ سَرق لت وان زَنٰی وَِنْ سَرزف قال وَإِن زنی وَاِنْ مرق على رغم انف ابی ر 
و کان او فَزَِذَاحَذّثَيِهدَاقَالٍ و ارغ مال ابن در نمي 
”اور حشرت !لو ڈر قاری کے ںآ یس ( ایک رت اٹ یک رم چ کشر مت می حاض ہوا آ اواپ ا تعن 
ےرا ی وق تکومیس وین لا آیا (k1‏ پچ رروبارہآپ ا کی خدصت ںای وقت خاش واج بآپ Ê‏ یوار گے ےآپ نی ۱ 
ہس پھیں شس شی ادرک وج انیت کا ےرل سے امراف و اقرارکیا اور اکیاقید ہپ 7۲ 
کا اشقا ہو کیا7 ا ووه ض ور چت یواح کاخ کےا یس نے مل 7 کرجا ای نے ورک اور زا کے ۓلناہوں )کا ا ر کاب 
ون و نے فیا پال خواہدہ چو رئیا اور زناکے بم کا مگ بپکہں ھول نے پچ جب ے )سوا لکیاء ارچ اک . 
ورگ ادرزن کا ا اتکی کیو ںا 20 ہو؟آپ i‏ نے راپ پال واو وتو ری اور زا کار ا موم ر 
بہت تبرت سے ع رف سکیا اکر ای نے چو رگا اود زناکے بر کا ا رکا بکیا وڈ( تی ری مت 7 یی آپ کی نے یی نرا ما ںخوا دہ 
ہل س 2. 00 گي جارہ سے اور ال غفا رک کی لیت ے در ہیں آ پککمہ می پلک ار اء ا ار ہو کم جے۔ آ ب کا 2 


٣ھ‏ جیب چوا ے۔ ۱ 


ار و | ۷٣‏ ۱ چلر اڑل 
کے ا[ ,7۴7۴.7۴۱۳ و ET TFT‏ صرت بیان 
کرت (بطو رش ا ںآ ری نظرہ "واد الو ونای اوا رکز رسے رورا کے تے_* بغار ی ۱ 
شش :لاش الد تال کی زات بے تیازرے اور ا یکرت بے ایاں ہے۔ اس کے شل وکرم س کوک بر تج ںکے وواک شک 
تو فلس یک رڑے ج وکنا رم ھب ہوا اگ رمےوقت؛ ادل ابال و“ انارو یا سے لور کا ر ی ھر ست 
کے زیلی و کد ہی ںکہ ا کش رت ا کے اما نک بنا تہ جال ٹل کی ن ا کو اپ رک چات ے سسرفرا کیااک ےار 
رتاش ای سے ج وناد کے مول کے اور جن بدا ایو کم رکب موا م وگال ون کی را اک کو" کی ہیں چا لوڈ رفا ری 
گے نب مور تیا اورودباربار شر ر ہے ےل کا تس ر0 ام کے رسو لک ر الت پر ائیان د اترار 
کے بعر تا را کرو اچالے واوا سا نے شروت کی اطاعت: نکی و اکر سس ر ہے اول 2 و پر اہو امک تو 
اہ بوت ال گی دی 407+ وذ رای کک بڑے بڑڑے سرن دو داد انان جنہوں نے لپ رک ند اللہ ور سول کے اکام. : 
ےس یں لراری ج نکی کروی حم شر ینتک اطماعت س ص گرا انہوں نے چ ب1ف ری تد امت وش من دک اور لو رل 
سے تو کر اور مرتے وقت ا ن کول ایرائن وشن کے نورسے ہورم گیا وای تیال ہے پیا رشت سے ا کتوبہداناہت اور ا اہ ٣‏ 
!ُ شی نکی رولت لے یال اور اخذاعئ کے ماھ ا کے اثرر کی واش ندم انقلا بپ کرو ات کیرک انرک سر اور 1 
کرای کو محا فکرداادر اپ a‏ ان کے بای شلا کو ایک تھا سے رار زارا 0-0 


چا تکارارویرا راس برہے 
۳۳ رعز نايت قل وول لوت الا عله زلم ہد اق اڈ الةوخدةرنك 
لوا ان مختد اعبد ور زس لا و ان سی غب دالله و رسو ول وَابْنُ امهو کَلِمَنْهالْقَهَا إلى 


مَزيَمَوَرِحّمندُو ؤَالْجَتَةُحَقو لار و حَقاَذخلة اله اة على ما کاؤ ین عمل فت ملي 

اور عہادہ ین سامت کے ہی ںکہ رسول اللہ پل نے فر چ ری اس ا گوانیارے ی زان سے اقرارکرے او ول سے چ 

اسل )کے الیل کے سو اکوٹی معبو یں او گوگی ا ی ؛کاشری فیس ادر کہ مھ ان )چا ہہ الد کے بے اور الم کے ر ول میں اور ۱ 
)1 ات کارت وس ےکے) می اک ر کی ان کے بندرے ادر رسو !ور اد کی لوڈ ی( رک کے کے اور ا اکا ام بس کو 
ای نے مر کی جانب ڈالاتھا اوہ ال گی شی مول رو می اور ےکہ جلت وروک (اوروا ی چری) چ تو ا تیال ٠ے‏ جقت یں 

رو روا ق کر ےگاخواو ای کے ا کال کے ی ہوں “(ہفا رکا وم 


تر :ا یٹم کیک کہ جات درد یدک لا ا ے ای کاچ ون ایب 
سی ان امال ی کڑورہال رت خر اون رق ے مواف و ی - تج 5 

۱ ایبا نکی یاد گآ و خیار رو اتا اور ! کک شارت :ع ۱ سی لے سب سے لے ا سے شرو رک رار واا ہب ےک ال کاو جرائیث اور 
ا کی ال یت ول یتپ صدق د ل سے ا عقاو رکھا جا پرا ی کے بعد رال کاو رچ ہی توضردرئی ےک رسو لک تایان ٠‏ 
لا جائے اکیا طرح نام رسولوں کی رسمالت ہے ایان رکا کی چات کے لے شو رک ے۔ میہاں مرف حضرت شی ایا زر ۰ 
غلا مت کے طورپ کی ہے اور ایک تاگ وجہ سے گی و رال ا کے بارے شس ای روو( ی عی ا ون )تیر ہے ےک کیام 
ابی وس وہ ا٣‏ قر 0 ر رکا یا دورو ضاح ت کروی کک گی الل حر و واش کے یں اورت اش ان کے 
اتر علول کے بہوئے ہے بلمہ دہ اش کے بنکرے اور ای کے ر سول ل سے اک سے ای ایک باندگی رم الع کے پٹ سے ب ر اکا ) 


غھ__ __- ت۴ مم شع 
کی لے نلکدا کہا جا نا ےک ا نکی سر٢‏ پرا اق راپ کے صرف الیل کےعلم کن" سے موی "رو الہ ”ون کو ایس لئ 
ایا گرا کے اترا ول 7و گی روش ی ےب رون نأ کال E‏ کیا ٹن قرا روا یا 2 ا اث .2 گے ۱ 
روو کون ہک دیاکرتے تے او کی چیا ناک اور لن جس چان ڈا لکر ازاداگرتے تھ۔ خقی رآ وجیرو ر الت کے ہی رتھور 
نر ت کا عقر ہ بھی جیادی سے“ “یال جات پر ایمان ون رکا اکلہ ہے کے بعد دوپار وا عتا رک ے او رجشّت وروز وا ق ہیں ) 
وو وه کو وی ی اوتا مسر ول سے ان م امان رکا اوخل ی نیت سے ان رع ادگ نچا ت اشا ان ہے راان حا کو 3 
hiz‏ مال 1 امیا ا ن ی 1ں رٹ ےت 7 سار ےلکن ھان تیآ مس 
تلق ہبہ پات کے ہ کہ جو یتاہیاں اور اغالیاں رست خداوندئی سے ماف ایی ہو ں کیال ہے زا ور لگ ینگ مزا ری 
ہو بعر ا کو بھی جقت ںو گل کروی جا ےکا اذا ای رم ٹکو اس مفہوم میس ناچا ہے 30 اکر ان عقا کے ما سے کے پور 
کسی نے اعمال' بیج کے ری تکی پچ کرت ہو ئے تاک ہا ایا اور قلاف شر اک ۷ ایی کیا و اپ اے 
اسے جت مواق لکیا سے کاو رک کی سے ان حا کے کے بعد اکال کے نہ کے شی تک نکی نی کی ال اور ان کے 
ر مول کےا جیا کی فریانجرداری فی۲ سک یتودہ اٹ گناو ںکی مزا کےا رآ رکار ات بھی جقت ین داع٠‏ لکردیا ماف ےگا۔ ا 
تبول اسلام ے ماب گناہ مٹ جات یں - 
٣‏ 2 وڪن ن عفرو الْغاصِ قال ايب الب صلی الله عَلَيهَسَلَمْ قلت اظ مينك فَلأَُابعَكَ بط يميه 
قبطت دی فال مَك یا غفزو فلب اَرذت ان اَشْرظ قان قرط ما فلت يعفر لى قان اما عَلِمْت ب 
عَمْزو او الالام هدم ما کان قبله ان غ الهجوة هماکان قبلا وان لحك بهد ما کان قله زوا ملم 
وَالْحَدِيغان لمران عَنْ عن ابی مُرْرفقال فال الله الى انا أغْتى الشركاء عن ليرو واا خرن انوھ 
1 مُمَافِی باب الرَیاءٍو الكبْر إِنْ شَاءَاللَهة تعَالٰی۔ 
”اور ضرت رون فلحا کے ہی کہ (جب ال تیال نے اعلام کروی سے میرے INT‏ واج سکیا لم 8 1 
رعا شن حاض ہوا اور مک ی رسول اھ الا سے ایا تھ اھا ےم ںآپ 59ے امک یی تکرتاہوں ۔آپ نے ہے . 
نکر ایا اھ (جب) اھا توس نے اا ات ھک ہا آپ کا نے (حیت ے) رای گرو ےکیا؟ یں نے عو سکیا با رسول 
ا( س ہے شر کر نا جاہتاہوں:آپ لت نے رای ایا شرا ے ؟ می نے عق کیا چا تاہوںن )کہ میرے (ان )تام تامو ںو 
مھا گر دیاجا (جوشی نے امام سے پیل کے تھے)آپ کو نے رای ا سے مروا کیام یس چاسے کہ ا سلام ان تام امول ما تا : 
سے جو کول اسلام سے و کک ہویں؛ رت ا ام اپول ورو ر e‏ آرت )ہے ال 2 کے ہوں ا انام ) 
لاوا 7 ہت وچالوم (گروچاے 4 ما سے کل کن ےہول 2 اور حشر ا رر رواٹ ےرود وآوں س وی یی ”قال 
ال تعالی ان ای الش رکاءع ن الشرک الخ" در “الک با رو نی الخ بء اد رہہ تک ایی کیان خا اط 
تیم 
2ھ ای ننس اکر فی کیک وس خ افرش رار اط کر وکت سے روز موتا ےت وکیا و 
زمانہاسلام سے پل کے اکان رازه و6؟“ سی فروشرک ڈو گناو ےل می سے کیل مار رچو تے رے لالب طابج+وگا. 
ای ؟ ای حدیث نے ای ست کو مما یکرو کہ الام کیاروا کی تام مارگ کو خواوووکف و شر ک کا تیر سن ھی گا 


لگ آپ مور و روف تر ایل آپک کیت او برای اور بیان کیا ےپ صن وتات ۴۳ھ یا نکیا جا تا بچ 


مارا ہر ۔ ‪٠‏ ا ۱ : جلر ان 
E :‏ کر ا اک TT‏ ا علو رل ے اہو انماا یکا لب ووا اک ا 
وہاں شر کی خفامتو ں کا او نشان رہ جاجاے اور د ناد و میت عزا بک کول خرش :لیکن انی بات جان لی اہ ےک کے ور 7 
مخفرت کال ولوب اورکناہوں سے چان موق کے ہاتھ یس ہے جوقرضی ہاش عاریت او خر وفروضت کے ےش اس 
کےزنہ یئ کہ سم ل بی رجا عو کے ہہ سا کے کے بعر ی 
ای بے لاژم رہ ےکا 7 وہاان مطالبا کی اداش یکرے جو اس کے اوہ اسلام لانے سے بل داجب ہوئے تھے؛ اہ اس حدمیث کے 
۱ تحت ہے تقو العا وآ کے ہوں جوزن چو اور ونار کرک ھور یت مہا سلام ےنیل نات ضا کر دپے سے ت اام 
بعد ان کون وایره ٤‏ یں ہو 

اسل مکی ووت ے تش ہونے کے بعد کوک یی لدان سے پاشاے شر کنا مر ہو کے یں لے ان ےار 
Ea‏ سور تک اورثرت رو اج بل تاد ےک اکر وولو کا ابا تما شرا کے مہا کے لر سے کے جا ای توب توق اللہ 
کے سم ےکفارہ ین ما ی گے ملغ کے بارے شتو ہیاں ح کفکہماجا ما ےک اد کے لی وکرم سے یہ جحقوقی العباد کے لے بھ یکفاروین' 
اا ے اور اللہ تال ایا قاد ےک این ترائ قدرت سے ماب ت کا کے ۴و ےکر الت ہکان عو ے 
3 مرو ارگ دلادے اور ا ےہا وت بت 


گر الان 
ٴ ارکائن دن ۱ 
(€ عفادن جَبَل قال لتیار ن لِاَخْیز بن يعمل یی لحد ادن من الکارة رقال e‏ 
فرعيو وهلي یز على منبش الله الى علب تقد الةو ركه اوقم الصَلَةوئۈتى روتوم 
e oe:‏ م قان الا ذلك على ابر واب الجر الصَوْمُ جنه وَالصَدَقة نف الْخْطية كما فى المَاء 
صَلاَة ااؤجْل فِی جَوفِ للش تلا رتتَجَافی جو نون هم عَن التضاجع حى بَلَع يَعْمَلوہ لفن الا اَذْلِكَ 
راي لاخ غفردوویزرہ تی لت لیب رخ فرفر زاش ۸ئ اھ خر نشکا یه تی ) 
ً لاد ون ال البرك بماك د ككل بُ لی انی الہ اذہ فا نف يك ما فقلت یا تی الله 
لمر نماكم هقان تَکِلثْكَُعّْكَيَامْعَادُوَمَلْ کب اش فی اثار على جۇھهۋاۇعلى تًا خر ر 
ٰ إلا حصا لھم زروا واج اتر رگ دائئ ادا 
7 رت ما ی" 02ف کت کسی نے ار ول الل رھ ۶ کڈ کو e‏ ہ0 لک 
سے فو سے > آپ پک نے ر ق ت تویہ ےک تن ےیک ت ڑگ ڑکا سوا ل کیا چکگ ت پ الہ تھا یما کر سے ) 
یں کے یہبہتآسا ن بھی سے ”راا ھا کین کر داور کو ا ۷اشرک شاک نماز اہن رک کے سان او اکرو رو وو 
1 8 ٔ ۰ اسے مجازاک یی تیر جملا کے رر وازوں تک نہ پیاروں الو 
مفواروزہ(آیگ| ڈھال ے(جوگناہ سے ھا ے اور دو ڈنک آل سے ٹول کے ور ال کی رو خر گنا کو ا ,2 
ارچ ے جیسے پاٹ ین فک ما رتا ےوہ اک ارات ( یں )یں موک ناما ر سیا نامک مکرد ہے )پھر پ نے ایت تلات 
i ۱‏ ( بیس بیس 7 کہ ایور رات شس الھک بارت سی ست ا سے اعد ایوگ آ یت اترم ےا ائٹا 


ظاہرق مر مرج ٰ ۱ لر ال 
)و ین صا ین )کے ہاور رات میں ارول سے الگ ر ہے یں (ادر دہ اپ پور دگ رکرو ف و امیر ےکا رے اود جو( نال )کےا ٰ 
کو دی چ اس شس سے وہ(خداکی راوس )خر ےکر تے ہیں کو نف سکیس جا امہ ان( من مین )کے لے حو ں کی ھنرک چا 
گر رگ یئ ہے یہ ا نکے اال امل (اتھام) ے جووکرتے ےچ رآنحضرت چ نے ایک انیس اس انی دن )کاسرا ور انل کے 
ون اور انل ک ےکوا نکی بائ رک د ج دوں؟ یک نے کیااں پار سول اللداضردر با ےب پل نے ف بای الس زی ار 
اعلام ہے اس کے سٹون از ے اور ان کو ہل نکی ہلت رک جہارہے۔ پچ رآپ انا نے نرا کیا کس ائن تام جو کی جا تاروں؟ ْ 
ںےم کیااں ال ےی ٠‏ . فور ےآپ لگ نے ابق فان ہار ک پچ ڑ ی اور( کی طرف اشار کے ہو ئے ) 
رای ا ںکوبندرکھو۔ ںیل نے عش کیا اے الل کے نی ن زان سے ج کی لفط ے ہیں ان سب پر مواخغزہ وگ آپ نے فریاا 
اڑا نک امک (مہماری ما ں ہی سکم مک رے ایی طرغ چان لرک )لوو ںکو ان کے مدر کے مل ایتا کے نل دو:زرغ شش 
گی دای اکیاز با اا۷ فیس ہو اہ رات ترک ایاج | ) ۰٠‏ 
شر :اس حرف یس ”وین "کی تصویبڑے فاق اندافیٹش ا جاک کی ہے۔ مطلب یک ٹس طح کی جسالی وچو رکا رار ”ر“ 
لت ے 2.7 وگ رس کو اڑادیاجاے وجمان وور بھی | : رے کا ای س امان | وم ی ار اوخید ورا لور می کے 
مرل کے ر2 کلم اگ رتوجپرورسا لت کے اقا رو ہناد یاجا ے اور رپ کا وچو دی پا یسر ےگا رس ر سی الو جو کو 
برقرار رکھے او رکا رآ بنانے کے ے ”سرن "اوک اہی ت کاعا ل متا ے اک طرحع دی یکاستو ن رار ۓ۔ ار ی وہنا رک طاقتدے ٠‏ 
) 4 مین کے وچو وگو والس اورا انم ری ےار فا زکوہٹایاچا کے آو نادجو دی ای الت بر قرا ری سے رو سم ہد جائے۔۔ اورک جن 
ر جرال وچو رکوہ ظمت بنانے اور ال یکی ش وکت بڑھانے ےک یاز اور رو و صف وخصوصی تک ضردرت موی ے اکا 
طرح چاروەضرورت یر روک کرت و شوت اور ترثی وو سح ت کا انخصارے اکر چا زک رخاو رہ سے جویازہان ے اورثواء 
) عو رسے کو ا ای جروجدے) الا سلا مک 7 ضھفےے ‏ ارت راچا کے ور اےدے کو اور ےا روم ل رہ جائے۔ 
ری کا آت قلخ رال“ ے ناک رایت مل ہے جودی کو اشحعلال دور وئ یکن یک ون سے جیا ےے کے ے ایک 
بڑے فیا کک نغمازہے۔ طب کہ دن کے وجود: وین کے بقا اور دی نکی قت وش وکر تکوپہنیان کیج بان سے زربا نکوقالو 
ٹیس رکنا رورا ای ظا مات کا پل تمہ ہے او ہا و سم ولور دتا کی چا ی ی طرف پیل ودنا سے لھا لا زم ے 7 
زان ین ری جات شی منہ ے ا سے الفاظ د کا 98 می جو راکفا اور رکا کے جا کول وہ مر ےکا 1 ہوک رآ یناه اور ای 
کے ہوں؛ ا کی کی تع تک رنہ جحھوٹ و لزا اوریا ارام رای کرت ا کی بر انیل یں جن سے زبان و ڑا نکی تفات نہک یک وھ اود و زی خ کا 
یزاب سہاے جد ودای بلا چاخ دانے اور ارق جات و ہعادرت کے طل پ گار کی لے اتی رانا تالو ر کے و کہ د 
معلو م ب اس سے کون البالفظا وکلام کی جائے فس ‏ افر بی ناو و حصت کا بات کہنالاز مآجاے اور پھر ای کی پا رای میس ال کا 
یزاب سار سے در یقت ”زان "بہت زیو ج سعارت لے جب کی سے ی فقلام ام س روہال کے الفاظاوروعظ 
وت کے لے کے ہیں١‏ دنیا وآ نرت شس اکیاانسا کار تہ بلندمانا جانا سے جو ”زبان “کی قت ویز کوہ رحا لک کوت کے پر 
٣‏ کاک اور ری الول ے ہر سورت اجتتا بک رتاوت ١‏ ۱ ااے سی 8 
ٰ یمان کا ل کیا ے؟ ۳ 
© وَعن ا ةفل فان سول الله صلی الله عَلَ وَسَلَممَْاَحَبلِله اص لہ وأغظى لومتخ لِلوفْقدِ 
سأ ے ای کادرہ ہے جو ع لی ران جس ہار جب کے لے ولا جات ے۔ ٰ 7 ۱ ۱ 


منطاہ رف ہے ۱ حا جح۔0 ۱ 0 جلر ادن 


اسَْکْمَلاليمَان رَوَاهابوْدَاؤُدَوَرَوَاۂ اليْزمِاِیَ عَنْمُقَاؤِہن اکس مغ دنت وفتۂَِقَداْتَکُملإبدان؛۔ ۱ 
”اور خضرت الا امہ کے ہی ںکہ رسول اللہ 8 کے راا نخس ای کے لئے محین تکرے اور اش تی کے لے یوادت 
٣‏ ر کے اور اللہ بی کے لے ری کمرے اور ا بی کے لم رچ کر ےلو شا ی نے ایا نک رک نکیا "(الدداذد) اورک نے ال 
رون رصان ا کے ری نرک ات کا ں کے آخری اانا ے ہیں "تر کے اپ ایا نال 
7 


2 :ملب کے بره جوکام؟ کر ےھ الھک خشنودگیاورا کارغاء مار نے کے ےکرہے: ای کو نی ین 
کی ر زی فاسید زا 8 موو اور مائشل وریا کے کت ہو لا اللا بتو نے ا ایور اوت رکتاے 
توا سک بیارض سک توا اش لی رتاو ی مقرو غل پرنہ ویک یہ وک ےکک قش سے تت رکنا ال کے نویک پپند یړ سے 
اور ے لقرت ود َ رست کو مطلوب ہے۔ اہر ےکہ اللد کے نیک و صا اور ارول سے مین تکر تاچ وک الل کے 
نردیک پند رہ ے اس لے وہ ایس سے کب تھا رکھے جونیک سو سیر خر وس ۱ 
نس سے ویر اوت رات الکو مطلوب سے جر و نارائ اہو ا س لے ےا ے* نس وراوت رک اورا کی سے جہن تک 
احا ن اکم کے ای یر اناا ل خر ےکمرنے اور تر ج :کر نےک ارہ کی اللہ یک ر ضا وٹوشٹوو یکوسا نے رھ لی اگ خر 
کر ے تو ای مگ اور ا لے معمارف مل خر کے چہاں تر کر کم ایل نے دیاے اور ہن مصمارف میں تر کرت ال کو 
طاو ب وبند ہرد ے؛ جہاں تر ڈگ رنانہ صرف بک کول ٹوا ب کا کم نیس ہے جک گنا کو لاز )رتاپ دہال خر کرنے ے اجتاب ٠‏ 
کرے اورک کی ای فیس یا ہماع ت کے ہا تھ مل ا دادو ساوت نہکرے جو الک نر متقبدل وپیندیدہنہ چو کی وہ چڑے ج کو 


: کیل ایا نکانا اث رار وا ےہ ۰ 
(A‏ و نان دز قال‌قال رز شۇ صلی اَلَو سَلَمآفْضَلْ لافتار انی الور البْْصْ فی اللو 


١‏ (رزا٭ااورازد] 
Ea‏ ا ی٤‏ بل رہب ےل رہ امک ےی 
ے) کیٹ ہو اور اتی کے لے کے وعداو ت کی جائے۔ ' ”(اارراؤر) 
تر :اگ ند ہکا !حا | تنا ملیف اور اک یکاچڑ بہ ااا ےس رش مغ 
- ات دراو اناو ے پچار ے٤‏ وریپ دنگ کا رد ک لے ا جذہہ وہ رر 
وا 
چا کن ہے ٰ 
® َع ان هُریْرة قان قال رسُزن الله صلی الله عَليه وَسَلَم الیم م ن سَلِم المْلِمُزْحْ من مايه ويد 
رامن من امنۂ الاش على داهم الهم ز واه ازهئ والنسانی وراد هي فى شُعَب اليْمَان بروَانة 
فضَالَةً ۲ الْمُجَاهِدمَنْ جَاهَد هسه في ظاغة اللو اجره مَْهَجرالخطاياو اذوب ' 
کروی دو ند IEE E‏ "ال 
کلائے سے آ پ کا رات مم ینک 


ار اهدي . ۱ 3 ) HA‏ ۱ ) رادل 


اور اشرت الو ہر رو کت ہ کہ رسول الہ ê‏ ےق کال اور س سان ذہ سے ین کےا ر زہانل ایز ے) ساق 
وط ہیں ور چا وصادقی) من دو ہے جس سے لوک اپ جن داپے ا لکا مو کی تر ڑی شای اور شب الان کا 

ے ثطل ے تورواہت لے ی لب الفاظ یور ھی ہے شی نے ال دک عطائحت کارت ماپ وج ۱ 
۱ کیا اد ( کہا دپ شک نے تام پچھوٹ اوربڑ ےکاہو ںکو رک کر دیپ '' ۱ 
ص یی شس م رک وید ہے نمس کاوجود لوق خړا کے لے اع ثا ینان وراحت ہو لوگو کو اش پارا رات روس ہو۔ 
ا کشت ودیاشت نر الت وصداقت اور اغلا و )ر کی اس رح ایال م وک نہ ۸7 نے ال کے ڑگ رلے جا ے ری ہو . 
رند کا اوا اک طرف ے٢‏ یجان و آبر کے تمان افر شہ اورتہ دک ےرل شا ت کیا جاب سے اور کخوفد ہرای: 
د 
قيار یو ا ا وکنا اور انرک راویش بی ے 
زی اکر اورا کی٤‏ طاعت وقراتی راز یکن طا نکی تام اما تک موت مات ارد با ے۔ ) 
ا ایو ےت نے ان تام چیو ںو ر کر ریاے جن سے اٹہ او راش کے رسول کک ےکر رکھاہو ای 
کرت کی کت۲ اکل مر باعتا میس کسی رکاوٹ کے مصروف رہ اور ال بے ہن چول سے e‏ ) 
سے چیارہے۔ مہا 2 ا 

ابات اور ایناء ۶ر اکیت'- 

© ون ات قان لم برشل اللهِصَلی اله علج وَسَلم لقال لمان لَاماتلکوَه من ا 

هدل وا الَنْهقِنْفِی شُعغب یمان ٣‏ 

”اور تضرت ال گے بی کے رسو لٹ 8 ou‏ س میں داش یں اکا اما کی 

7 اود نیس بیس ایا یر7 امیس اکا نا ا گیا 7 یں" حب الایات). ٣‏ ۱ 
شرع : امانث وویاشت اور ایاء خر ود اگ اوصاف ہل ن کا لدان وم ین مل ہونا ورگ ہے ان ادصا کا ای تک رازہ 
ایج مث سے اوتا ےک نیک ریم پل ج بھی دعنا تیت را کرت تھے باخطہ رو کر کے بے :تواانت دیات اور الغا ےہ 
کے پارہ بیس قرو رای ماما ما ری جے اس لے میس کی فرت یات دد ات کے سا یس پک مول ہو اس کے انر ران 
اوصیاف کے کر طرق طور ر ہے یں ج زنر کے جرموڑی نید ب لا کی ا سار یں ایا طرح الغاء عر ترت 
ملعم اور یما نکاغخاصہ ہے ای لے فربا کی اک ٹس کے اندری اوصا ف نی ہو کے وہ دید ایا نکی یت ے مھ لطا 
ا اروز اش چو گان ھا حور ثکامطلبپ ٹیس ہے کہا کا ائان کل بی مد جا الاو 090 


و ۱ سے 


٤ الہ ےک ام لیاکیا ادرتاکیرا بی ایک دک رار‎ ٠ 
ضز لالت‎ ۱ 


اہدا نا تک ضائت ۰ ۱ 
9ن غظ: ن اتفال صوغ زشزن الله صان له رر رلم شرن ۱ 


تار ودی HH‏ طاول 
مُحَمَذا مول الوح مال عليه لار ارد ً۳ .0 


”ضرت عباوہ بین مامت کت ہی ںکمہ میس نے رسول را کو کر 2 جس نے ( چ رل سے ۷اس باتک ۱ 
انی ر کے ایر کے سو وی سوہ 2 ہو اش کے مرل ہیں وف تال بچ ل م داگ ۶ہ ۱ 


سگ e‏ ۱ 
) توحیدگی| بت 
9ر شرن وري ل نز زنر لرل طط لئ ات وِمُویَعْلم اتد له 
الله دحل الْجَنة۔(رواہ 
”اور ترت کان من فان کت ںکہ رسول خدا یل نے ایال ' را ما ماک برا 
ووش تووم کچ 07 
جت اور ووز ووا جب کر وال ۱ - 


9 رعو جاب قاي قل رضزن صلی ال ج ومين ئزجو قل اسول لەت زجكاي فان ) 
لمات يضر كباللهِشَینا دَحلالنَازَوَمَن مٌاتَلا؛ شر كباله يئال الح درد 
”اور فرت جا کتے ہی ںکہ ر رل قرا کو نے فیا ”'دو راٹس جت اور دوز رکو واج بکر نے دالی ہیں ”ایک ا نے عو 
کیا پار سول ال( جشت رووز کو واج یکر نے وای وہ رد پاش کو سی ہیں؟''پ نے فرایا” ھی با ت7 و گی نف اس مل سس 
و نے ےسیک ا کاشمریک کچ را رکھا تھا وو وو رخ یں ڈالی دا جا ئگا(ادر ددع بات ےک یس تع کی وفات کیا ال یش مول 
کےا کے ےک یکو ال کاشرک کیا ری کہ اس کر 
20 :ا امار تک مطل ب کی ےک AI‏ تس ایمالن لایا اون الیل اوعداخیت اور انل کے سیا کی ساتجد رمو لک رسمالتحید و 
ڑا کیا ار تہ اقرا رک ےقامتاضو ں کو او رااان شریعت ود کب رک لو کاپ وک او ریا عنقادواطاخت پر ا کی 
مو تآ یتو ھا ی ے۔ ا یک یات یں پظاہکوئی شس ہوکائیکن ا اک سے ل کی ایال سرد ہیں 
اش یت ل ارفا ایی بیان یہو تو ا کی “گی اپ رک تجا ت رامو گی لیکن 1ں سے رتاش جو الال ہیی 
اہ سزدہدئے لن ىر ا کوآ قر تکی سرک 8 سز کے پیل پیش کے لئ جقت میسدد اخ لکردیا جا ےگا اس سے معلوم ہوا 7 
کہ پگ تھا تکاداربدار انان پر ہے اکر امان چ اور اک عالت بش موت وا ہوئی تو اپزی تھا ت کو شک اور 
اک سے ریت پک یں یا خدا وگ کاک رمو لکی ییو کاو پرا اناگ را مرا کی 


ایک کد وذ دت نے ٢وک‏ الہ رک کے کے لحرو ابر یا کی ساوت سے وازاہاے کا ٠‏ 
) شد ور رق ا رنے والوں کے لے ج کی شارت 
9 وَعیٰ آپی هة قال اعدا خزن زشؤ الل صلی اللَهُعَلووَسَلم وتغتا ابۆېكارۇغمۇفىفرففامرشۇل 
۱ رل حضورصلی الہ علیہ یلم کے تیسرے خیقہ اور مشہور و مروف عھالی ہیں عضو کی دہ بیٹیاں کے بعد رک کر ھتران و 


لب زوا ورن ےار کے جات کے ماش ۸ 7 شا لی مروز تھے اپ وار نے مہ رم یس شی گیا۔ 
E I‏ سای ماج آپ کے داد راڈ ورپ کت اوھ ا نک ےد ۶+ ما لک گر یں ب ھ یں ونات پل ۔ 


ظا رکا ہر ی_ __٣‏ لاقل 


الله صلی الله علي : نَم بن تیر مركا فا علي ربج تع دک وقر قرعا متا فَكُلتٌ اول مَن فرع 
فحَرَجْت فی رَسول الله صلی الله عليه وَسَلَم حى اهت حَابظا انار لتب النُجارِفَُزْتٌ بههَلْاجِذُ لباب 

فلم جد فَاذا ريع يذ حل في حف حائطا من بئْرخَارجَة۔ اربع الْجَدوَل قان قاسختفزت قحلت عَلی زسُزلِ 

الله صلی الله علیہ َسَلَمْ فان آبڑھُریرۃ؛ فقت نمیا سؤن اللَِقَان امأك قُلتکُلتَ بین اَظقْرنافقَعْت 
قابات ت علا فَذِیتا أن تع ڑکا فرعت كنب اَل من قرع فاب هذا الحَابظ فَاخْتقَزْتُ كما يحور 
لغب وهو ءااش وَرَآئىٍ قاي با رة حْطانیٰنعلَهفقَان اذهب تغل یٌ هان من لَقيَكَمِن وَرَآءهذا 
الْحَائِط تشهد انل اله الا اشقا بھاقلە بر اة قگاناۇل م1 قثت عمر فقَالْمَاهَاتان الان 7 
با هْريْرۃَفْقلب مَاتان غلا زسُؤل اللوضلی اللَةْعَلوِوَمَلم بين بهمَامَ لقِيْتُ هدن ا بللا انيف ) 
بهَا قَلَبْةُ ُز اة قرب عَمَر يْنَ دبي فخْرزث لاستیٰ ی فال ازجع تا با هريره فَرَجَعْتُ إلى زَسشژنِ اللہ 
٣٦ EF HT TI‏ س یگیگیی۳۷۶ٌ) 


ات شی اد ۴ 


Jl 


EE‏ وتا طز كاك غا اعت هرمون دای قت رن ت 
اَاھریر ةبِنَمْلِيك مَنْ ای يَنْهدائلا إل ال ال نا بهاقلبه ب َشْرۂبِالمَتد ا مغ فان فا عل فان حى 
أن بتكل الَا عََيْهَفَحْلههْتَعمَلوَْقَانَ زمزن للِصّلی الَدعَلَيزِوَسلَمَفُحْلَِهم۔رں؟ ٰ 
اور رت ال وره کت ہیں( ایک درئ)چن در حاپہ ر سول اللہ پا کرو شش تھے اور جوارے مہات حضرت الب و نضرت ر 
بھی کہ رسول الہ پل اتک ہمارے در مان ےا او رکہی ہام ریف لے ۔ ج بآ پل کے بے مت وب 
(ادرواہں ریش یں لا ئے )تو یں خت اشوک ہو یک یں جیار کی خر موچودٹی یس سی یک جاب ےآپ ا رکون اناد 
ی پا (اس خیال سے )ہمکھبرائے اور اٹ ھکھٹڑے ہے کک سب ہے م انس شی تھاجوکھیرا اٹھا اس لئے ( سب سے یں 
رسول الہ پل کی حلوس میں باہ رکا اور ڈحونڈہا ہوا تیل خی بار کے ایک الصا رک کے با کے ترب کیااک خیال ےک شاب 
آپ لی lJ!‏ ےار ر ہوں )شس لار رجا ہے کے ےت رو مرق رروا: Fs‏ زار شم ب او گرا ا ہہ )ر ردام 
یسب ام تک ایگ نال را جو اہ رک ےکنونی سے پار کے اتر جار ی کی ایز ویش سم ٹ سک کر اس نی یش وا ہہوۂ اور امس کے 
زرایہ رسول ۱ زکرم کک خ مت اټرں میس ا آب رط نے ای ری اچک ا ہے ا سے کے رک ھکر رت ے] فرماماد 
ال نے عو کیاگی ہاں ارول اا آپ کا نے فر ایبات ہے ؟ س نے عض کیا ر سول ان" ھآپ پا :مار ے 
در میان قرف فیا ےا رآپ لن شھے اور ہل دہے۔ جب ت در ہو وروا نمی ہو سے تو مکی ےہ ہیس مارک رم 
موجودگی ل( قرا اتپ( کی عورش سے زو چات ہو ائیں اور سب سے پیا یر ہت ھپ بای ہوگی چا آپ 9کو 
واوا ای ماخ تنک کیا اس ہیا دددازہ نظ کی ا تولو ڑ کی طرع کک کر( نالی کے رامت ے) اتر ایا یہ لوک یی میرے ۱ 
سی آر ہے ہو سے ( یس نکم آپ ا ےکی رولوں جوتیاں کال کر کے ری اور قرا سے اریہ !جاواور ان جو تو ںاو اسے 
اھ نے اؤہ فو جان یک تم میرے پا سےآئے ہوا اورا کے اہر یت صر ول اور کت اعنقاو سے گواہی جا ہوا 
یں کیہ ایل کے سواکوئی عو وای توا کو چت تک شارت و نول( ترت الو ےڈ فیا نے ہی ںکہآحضت پٹ کے اس ام 
کو ٹ ےکمرشیس پاہ رکا آو) سپ ے کل تحضریت ر سے اقات موف ۷ا نہیں ےک ما الو ےہا جوتیا ںی ہیں ؟ می نے کا جرتیاں ` 
ر ول الد جن کی یں آپ لے کے ہے جرت اں رال کے فور پا ےکر ای لے تی کہ جرش مرن رل اور چت اعا ر کے سراتھھ ) 


:ا ا۳ ` ۱ | لاقل 
وات وتا ہوا ہک ال تی کے سواکوئی مجبو اٹ فو الکو جن تکابثارت دے دوں (یے لے تی ) کے رسے کے بر ا 
زور سے پان مار اک یل ری کے مل پارا اور یر ا چول لئ کہا ال وچ ےہ اوو ایی جاؤ۔ چنا ٹیش رسول الد چا کی خرمت ٹس 
وای او ٹآیا ور وٹ وعو ٹک ر رو کے لگا۔ اوھ حم کاخوف مھ پر سوا ربیخ ا کیا وتا ہو ںکہ وہ بھی میرے کے یآ سے رکار 

وعم 4 ے (ے عالت وک کی فربایا ”الد ہریرہ کیا ہوا شس نے عورف کیا با رسو اللہ ا( آپ ڈیا کا ام ل کر ہاچ رکا و( 

ٰ سب سے لے می ری لا قات ت ےل می نے آ پا کو نکادہ ام ان تک اھاب ا ہوں نے اک یکو سے ی ) میرے کے ب ا نہ 
زور ےہ اھ بار اک یش سی رین کے یکس زل ہآ ٹرا او رچ ر اہول س کا ہاکنہ وا یں کے جاؤو ہا کے بعر سول انڈ پا نے (حضرت 

۱ ر سے )لوا ف22 ڑم نے ییاو ںکیا؟' نو کہا ر سول انل ا آ پاک ا سے ہاں باپ قران ا۲ے 

الو ری کو انی جرال رے وک ا لئ پیا تھ اک ہنس نصدقی ول اور خلا کے ات لا ال او کہا ہوا کے ال کو جق کی 
بثارت رے و ں۲۹ شرت نے فرمایاہ ہاں ا ر نے ر کی اپار ہول ایشا لاہ کے کی ڈور ےکلہ او فکہیں اک بارت رھ روس نہ ۱ 
کر یں او رگ لک رای چو زومیی) اس سے آپ امنیس (زیاددستے یار گل یش زاوی رسول اط پا ےرا ۸ 
مارا بی ورو ہے لو 7و پچ وو ں کو صلی لار ےو مسر ۱ 

اش :خضرت نے جت تک چوہثارت حشرت ابو ہریرہ کے ذروژہ لولوں کک بنا نا ای تی ۶7 ك) 
یس اخلاص بور ی کے ات تیا مطلب مطاب ےک ت نے ا کیفیت کے سا تھ ا کو ایک اور اپا جود پروردگار ان ا اوڑی 

عقیدہ رکٹ ر رکا کہ تووم سے دل ودا می موی یگ رای یا ورد کو ںکرتاہےاورنہ اک عقیدر کے یکس ی کرک 

وش کاشکار موتا ے کا کی کے لی وز“ اور | اید آم رک راو ار اور اياك و رت سے ستارر؟ کے کیاوک خرن" 

مقاد ریو وناک برای کے ائے لو ولیت اوررضا سے ی اہ اور حاضا ای کے کیان اور مقی وک ناآ ا 

) تخس ت جک ارک سعا رتو ں زار رک 

را سوال خضرت قارو کے رویی کک انہہوں نے ] نے 7 E‏ 
گبوں روک دا وگ دیا اور ےگ ا کاروے رہول اٹ ہللا می فی یس رکاوٹ ا سے اور ذات رسالت پناوکی ععحمت ورت کے 
مزان طرزیل اتا کر نے کے مترووف مھا یا نیس ۹ تو اس ساسا می یہ وکنا اہ ےک اس بشار ت کا حا ومن وش بجعت ک ےکس عو 
ستل کے تازو اشا عت سے تھا سی تال بہ واساس کے اظہار سے نظاہرے وی مت کی شرو یتک با تی خی حال یا 
حرام کا با نکرناٹیس چ کی فرش یاواج بکوناف کر نیش امہ ود وس رت وعالم کا کی نرابت فی و حب تکاایک جذ ہہ 
اج ائل ان کے سیک ہے اختیار امن آیاتھا اود اس بارت )کی سورت می ایک ایک صاحب ایمان تک مل جاناحاہانتھا۔ چنا 
یشارت جب حشرت ع تک گنی اور اہول نے ورک طویر حو کیا ےکوی ہثارت اق کہ ایک ۱ یقت ےلیک مصصلو تک 
ضا ےک ایا الیم علہ می ا یکو عام ماتوں 7 تک ظض کشمےدیا جائے اورپ رک ر الت ٹیل عاضر وکر ال ہے ہد ہج 
ہارکر دا ہا تس رھت ام پا کہا حتفتت کاش رر جزب الب کیاے؛لذا اہول نے بل کام کیال حضرت 

۱ ا کا زار2( ےل ت ی وج وت رت ول ا نے بی ماق ا ا 

رحول اھ چپ کی طرف سے امور او رآپ و کی سے یہ شارت عطاف بای تو اہول نے !نے من اور رسول کے ش کی 

کامیالی اور قاض دک یگیل کے لے ار کل اور دا رمفزخاد مکی تیت سے اپنامشورہ با رگادرسالت شی لکردیا۔ کر ہوا کہ 
جوں بی ضرت عڑ نے انے مشورے میں اس حت کی طرف توج ولائ خو آنحضرت اتا کا ون بھی وھ شل ج وکیا اور 
آپ ظا وو زی چک اکا ص- ا تک کی تووہا پسس مت 


۱ مظاہ رف هرر ْ PFP‏ ۰ چلر اقا 
کک سی ا وی نے ای سا ار ے دودوم ے شک 


ا ففرا اور اس نشار تک شاع کم وای نےلیا۔ 
e‏ گر اس باتک چک کی شر یچ ریا شاع کا مال ہوا ی ووا جب چک نفاؤگ بات موقتو 
ٹوو حطرت رکو اس می راو شال ےکی شہ رات ہوٹا۔ اور دہ صخرت الو یر ڈوو ا یک کے ال شاع کور وک د تہ 


اتک کے ع تل من اوررادارخاد مکی هی یت سے سب نے پیل و لوقبو ل کے اور ای ران رسال تک اشاعت میں ٹورک ٠‏ 


جات او نیف عوال حضرت گر را لے نوا مکی وی رو اشا یا کے تو یری رگادرسالت میں نہ ان کے اس روے سے چ اوی 


بول اور نہ ان کے کی مشدرے اور را کو وپھیت او رآ وی تکار رج ہلا کوک دی اجام او رش رگ رابات می د دی حر ےو ) 


را ےی اش وول ہے اور کیک را کے او ر شور ہک وکوگی امع کی جال ہے نپ بی بات ت کے ما راد ر الت یں نضرت ت عھرکیارائے 
1 ا اس با تک ری س کات سے رکودورویہ سے نہ اک ان ایت کون ا ری 
وریہ رسول الک یع عر وی چول اڑا اس صد یٹ ےگ کین ا ضرع کی بات ماب کرتاہ ےت وا کی ری نارائ ہے مہ یقت 
تویہ س کہ ای صد یٹ ہے اگر ا طرف اد ک بے مایا رقت او رات کے تی رسول ابا کی انان بت ,شعت تک اظہار 
تا ےتزدو سرک طرف جرت مکی اصابت رائے م دفر ست یرت ودای رارسا نکی صا فول اور بارخ لک 
ات رکم ل جار گی وص ف کال ے۔ 


@ شخان رفز ا سز صلی الله سلمف : بیع لجتدنْھَاذڈائا لال الل 

۱ رادا 
ظا کے ںکیہ رسول را و کے راچ ول ادمات ہکرت لے 
کے سو ری جور یں :جج تل چیاں (عا کے ا 


کروی رتخا ت ازرد ' 


9 رَعن عفان رصن الله نا عنقا ن را ِن حاب اي صلی الله ليو وسلم جين فی حزؤا عليه 
خی کا بطم ولوش قال عفان كلت بعصم فِا نا اش عَرْعَلنّ عر وَسَلمَفْلم اَشْعُزیوفاشنکی 
عُمَوالٰی ایی کر م قبل حى مَلْمَاعَلَیَ جَميغًافقان َكرِمَاحَمَليكَ على أن لا رذعل ايك عُمَرَسَلاَمَة 
تافلت قل غمزبلی تقد لت نت وال ماكعزت أك مؤت لمت قن كردق 
عُنْمَائْلَدْخَعَلدَعَنْذيِكَا موقت أَجَلقال ماهر لے توفی الله تعَالٰی لى اللهُعَلَيه ك8 
عن تجاة هدا الَمْر قال اب بتر قد ماله عن ذيكفقَمْت بلب قلت لَه بان انت وائ الت احق بها قان وبکر ٰ 
یا زشزن اله انها ال فان مول اللٰوصل اللهعَلَو وس مزب تی لمان رضت على 
عن فز دََا هی لَهُنَجَاة اروام ا 
اور حضرت شان یا نکر ہی ں یکرم پا ہیں وکاک ای مامت وحن اتان کانمن 
چٹ لڑگوں کے پا وتوہ طرہ ےرا کی تک ہیں شک وش یک رفا رنہ وو این اتی اس واچ ہکاشکار ہو پا کہ جب رسول 
الل ہل اس دنا سے رتت ہو کے وران ورل کا گی تام وکیا حضرت مشما کے ہی ںکہ ان لڑگوں شی ہے ایک میس بھی 


مر وري ٠‏ ۷۳۳ ٌ ۱ چلال 
تھا چنانچہ (ال ںیم عارظ سے مخت ران ال اور و انرد کا مت بای جیا کا کے (اکی خا لت یس ) حطر عم ہے ا۴ رات 
آزرے اور ہے رسلا کیہ جوا پان ہو ےکی وچ ےک میں چا کہ دوک مر ےپاقی سےگزرے اورک ملا م کیا ضرت 
گر نے اس با تک کات حضرت اور ےک حشرت الاک نضرت گر کے سائٹ ھ میورے یا آئے اوررولوں نے کے سلا م کہ 
جخرت ابویک نے کے سے لیے بے جیا جنر کے سلام کیا جوا بکیوں نیش دبا پیش نے کہا ای ائیس موا زین یھ ماک 
کنا نل ہے کر یھ سلا کیا ہو ادریں نے واب تہ ومو حضرت شان کے ہی ں کہ شی کہا ند ا کے نا کا احا ل کیک 
8 آپمیرے پا آئے تھ اد نہیآپ نے سلا مکیاے۔ رت ابو نے ظ مایا مان نم یں ؛) بن معلوم ہوا ےک نی خاش 
07 و ےکی نہیں رو اور ہت ان کے سلاممکاجواپ دے کے شن کہ ں ہو ۳ 
ہے انہوں نے لھا کیا ہے ؟ یں ےکہا(سرکار دو عام پل کی وات م کیک راز کیہ اب ےکی کا سے یتاس ےکمہ تھی 
ج۔. پچ اس دنا سے تریف ے کے لیک نگمآپ چ سے یہ دریافت :دک کی ےک اس موا نشی عبارت می دسوسوںکا پا موتا 
مبان کا مادوزر کاک اے ھا ت کاڈ ر کیا ے؟ الور رایام رکھائؤاشس ا بار یں حضور چا سے ےکوی 
جاہوں: حشر مان کے ہی ںکس ٹس ( بے ا نیشیا )ر ہوگیا وو رپا آپ ی میرسے مال با پ تران» ایآ پ تی( حور ےکال 
) کی اورحمول عم کے قاری شو کی وہ سے اہ رہش سوا لکرنے کے لے لا تر جے۔ حضرت الو سے فا یا ایس سے کیا 
) ماک یارسول اشا ال معاللہ ٹس ٹیا کیم یاصورت ےتورسول نر کا نے فیا یا کہ ج تس نے رخو ول کی 
سے ود تر ےتوھید کول ریا ےش نے پیا لطاب کے مات بی کا تھا ان ہوں نے ا کول نی ںکیاتھا توو ہک ا تح سکی 
کات افا کی وک اج 


شن ویر کے RSE ala.‏ 

کے تقاضو ںکو لور کو کے وین کے نرو اش کل کیا تود کہا رت ںا ی چا کا ضا مک او ا انت ا کیا 
عا رآولں سے وارا جا کا TE‏ سض رو سس E‏ 
۱ کت اک طح اہ ہو یک ا لکل ہک بدولت کر وخیا ل اور گل پر شیطا ن کو تادا م سل نیل ہوا کالہ نہ داپے اوروسوسے پیا 
۱ مول کے د ازو کارت کے دورالن خیالات بے چ ری کے اورت دل ووا لوک وشات جاه یں کے پل بی مپا رکب ورو 
۱ وزکر سے زات! کی معرقت ما e‏ ترت سے لاہ وکا اور ر ول ر رک ا سے حم تو وی یت دا گی ۱ 


لور دنا 9 اتوید یی 2 


© رض بداد اسيع ردزن اللو صلی للٰاخَِو لوفو فن على کلاس یٹ مَلروَلاوَنوا 

مه اَم لا سام زِحَررِوذِ دای انور 5 مُوٰاللهُفْجَعَلهْْمِن مھا کو 
ہل سد ۱ 

”اور حضرت مق رار ار سے روابت سے کہ انہوں نے ر سول اللہ کویے خراتے نانزشن کے او کو گر ترادو کاچوی امک ایا ) 

ال نہ رہ کا ی می الل تھا ا سلام کے کک کو جوز زگ رت کے ات او رڈیل کی رسوا کے سان وال نکرے (چا ی جوارگ ا 

27 ہے ہے ماحد کا اور ۰- قر اوک ال _ 


ا کے موم و 


ارت ہر ×- ۲۴ ۱ ازل 
کر کے ا کر اللہ تا زک کر ےگا اور دہ لوگ ای کے کے وفرایجردار ہونے پور ہوں گے (پای طو رک ہے او کر 
کے یسلا رات شر هکیل گے ای نے (یہ م نک )کہا :ر آوچاروں طرف اٹ ت کارین ہوا“ ات 
شرع ٠‏ زین" سےعحراد رة الم ہے“ ہے ا رح می وو رضم کےگھرسے راد جزمرق ارب کے شہراو او ہیں ی رے ۱ 
عرب ٹل صرفف ایک دن ”اسلام ”کالول الا وکا اور صرف ایا کے پو ”دن سرن عرب پ ہوں ےکوی مان توا اک رکا ہویا ۱ 
دبا ت کا ایا بائی نہ رہ ےگا شس ایل تیال الا کاک مہ اوس ےگااک رکو کوک او رربت ایمان ےآ ےگا اور اسلا مقبو ل کر ۱ 
ےگا توایٹہ تنا ی نظ میس ا یکا 7 پان" ہو جا نے کا ET‏ کوعّت وص ڈرازگی ہے لواڑیں کے : 
یکن چوا رک خرور وس ری وغتیا کرس کے ٹین ا لک کو بول کر کے د اتر الام می دافا یس چول کے اور راو ر غبت کے ساتھ 
دی کے ابعد ا ریش ہوں ہوں کے وہ زا تکاطوق شور سے لے میس ڈایل کے بای طور پک جب تام جم ارب بر ومن اسلا مکی 
ملداری ہو جا ےگاودہکافرذ رش لوک ج کی اواشگ کی صورت می الا نظام کلوم تک الع ار نے ر کیو ر ہول گے اور ال 
جرح شہ مرف اس دنا الیل تعالی ا نے دقعت او رکم 7 باد سے گاب ہآخخرت یل گان کو ارت ے دررر ادر او رت 
یا س یل ملا ال ےج ۱ ۱ 


۳ت بب إل اله فعا ةقان بلی وکن تبس فعا بره شتاو فان 
وو تو سے ُفْتحلكَ۔ روا البظاراٹی 7 جمۃہاب) 
”اور شرت وہب بن خی a‏ ےب سض ہت ےکس ےش ۱ 
نی ںود کے بھی ضرو ری ہیں یں گن یی کے خروم دہ تی ال سے بت کے در داد کل 
ج ایت رد ا ےت روا ےآ 0 یں کے ار رج اباب ) 
۱ رط او س۸ ۷ و ی ر اس 
نے رسول اہ نٹ کے ارشماد میا رک (حو ریت ۳۵ )کا سمار ا ےگ کہا کہ پتوکل کے پارے می :ا شرو کے مات تفر 
ٰ ر سے یں عالانکم لا ال الا اللہ ہش تی ےو نون ول یف انتا اقرا رک رلیاوہ جشتکاجتق ارہ دیاش اہ ا کی 
ند دہ ری ییول او رصا ا مال سے مراورہوبانہ ہو۔ ْ ۱ 
اکسی پر وہب مکنا مہ نے ارشادف ا اہ با لالہ ال الہ جن تک نی ہے لیکن یہ با بھی ماد فی جاک ی اس وق کم 
کرل ll‏ یلول رائ اہول اکر یھی لرا میس ہیں موظاہرے) ا س میں پل تا اک ارجا اللہ 
لا الل اکر جت کی سج تو ای کے ونرانے شرییت کے ا 6م و فک ہیں۔ ہیں چ شریعت کے اام د این کل یں 
کر ےکا توگویاوہ آخرت ٹل ایی نی ےک رآ ےکا بیس واندانے نس ہوں گے اورجب ایکا شل رٹ را سے کش ہوں کے توود 
ےک ررواز همول میس یا تک ےکا ۔ شی کارروازہ ایا صورت یس اجب 3 وید صداق کا اباك موچووہو: زا ےا گن 
انا ن کا رار ہو او ینز نکی اس ائما نکی مہ جو اس فو رک ون وش ربج تکاا تیاغ اورفراتردارق اک ای کک ےظاہرف . 
ایھر وئر الوں سے راد ٹیگ اعمال ہیں اس صصورت بیس مطلب ے ہو اک جب کک اعمال نیک ہوں کے : جقت کے وروازے _ 
چا ویش می کل سے اھ شی جب دیو ںی سز جا گی وکنا میت ےھ ہل ایک وجنت کے روز سے 


ل و جح ا ںیت دان سج اہ مآ پک دفات ل د 


ار ہو ۱ ٠ ۲ ۱ ٢۵‏ ور 
: یک 7 


تاوغن ان ةقان قال زشؤل الله صلی الله عليه رارق اخسن حدم لکل تيمها 
RIES‏ اَْنَالِهَا إلى سَتَعمائَةِ ضغب وکل سَیَتَوَِ>عْمَلّهَاتُكْتَبْ مله حى قى اللَه۔رمتفق عليه 
”اور حضرت اد ہریڈ کے ہی ںکہ رسول اللہ پل نے فربایاج ب نم یس ےکوی ت( سرت رل اور افلاگ نی تبا راپ ایا نا 
اھ نایا ے روہ بھی ویک ےار ار رار میا - سی وس ےرات سوک کاو ں کاز ام اج رنکھا ساسا سے 
وجو کرت ےا پ ا کے ام ال شی ال کیل ا ھاپ چ یہاں تک روا سے لاا تکرے۔ “ 

۱ رار 7 
نر ا یکو ویر ے نل ن ت اْعامات ہے لوازا ے ال میں سے ایک مس تب ڑا 
نی می مرو ای سس مب میٹ 
کے برابر وین مر السا لای ںکرکی ب اس کے رس و لواپ اک ںگو وم اا ے اور ا گر ری کی ہو تایلک چوں چو انان یں 
صدق وا سق مت اورخل میں شلوض ویک ا یھی ہا ے اک اتہر اجروانعابات تی ڑھتے جات ہیں۔ جاک ایک ی نیک 00 

۱ مات سو نگ کہ اکن سے کی ارہ اج عنابت فیا سے جا کے ہیں اہ و عالات ۴ ںآذیہ اا زو اور زرو کی صد ے کی ٣‏ 
تومو خاجاے۔ جیس اک کہا جا جا ےکس اگ ر رم اک می کول خی کم لکیا ہا ےقواس مقرس چ کی خلت و فضبات کے یل شل 
ا ایک لاکھ اج کے جائے ہیں اس کے برخلاف اکر من سے بنتقضائے بشری کول برای رزو ہو ہا ےآو وس گناہ اضافہ 
کے اھ یں ایی گے وت ہر شور سمش ران ارک 


بسچ 


ایا نک عظمت 


© رخن ای اراسان رۇن الى للخ مم امانا إا سرك خىىك راء ن 
سَنلْككفانتَ مُزْمِنٌقالیَاز سُولاللَهِفِمَا الإ قال ٣إا‏ حال فی نف كشَيْنفذَْة(رہا: ا 
”اور حضرت ااا راوی یں کے ییک نے رسول اط کا سے لوتھا:(یا ر سول اہ) اما نکی لای ی اعم کیا ہے؟ 
آپ ہت ف راجب قاری کی اکس ھی تھے اور ہار ی برای ای ری ےو ھوک )کم زلے) من ہو کیچ نے ٣‏ 
یسا ارول انل ! الاو( عاس 72-27 ۱ آحضورنے رای چب 4 ات تہارے دل مک اور دی لے او وہ لزا 
ہے )لزا ا اوور وو را ) ۱ 
رج :سوا کا مقصدی اگوی سی وش علامت تاریم ے ٹس کے زرل اما نکی سا ا کیو ا تام تک 07 
نا ہآپ لن نے فبایاک ہک نم اپنے اندر ہکفیت پاک ج ب کو ایا کم کر ےو ہار قل ب دو ماخ ا :کا مکی ھلاٹ یکو خرو 
کو لکرجاے اور ایک تائ مکی مانیت اور مووک پاتاہے۔ اصاسل وشو رکا نال کی طرف سے کی کی قوی ا ودرا م 
را و شاداں اودر بک مکی ر شمنودبی وقزی تکیاطل بککارکیاد امیر وار کے مور ہو چائی ے - کہ جب بتق ضا کے بہت 9 
ے کر ایا کل سار جا تاس جو داع ور راد محصیت ک کا کچھا جانا ہ ےتڑا نس ہد ے ےر جاتاے اور 


مار جرد ۱ ' رع رپ لزززل - 
رورو گار تارا کا ر سار وناو م و انا مو ت رھ لوہ یمان ہار ےول دما یل رب ںکیڑے اور نے مو کن ہو گج 
ہو کرک ووریدگی کے رمان اش زکرم ڑا پورگ حال وشعو یی کر صرف اھان کے فام چ اکتا ورمز ۱ 
اعا روق مو کن کل جا وہ خی سن کے ب می سکیس جوتا۔ 
دورے سوا لکامطلب ورال یہ تاک می نکو اروز مروز کی م لچ ایی وو سے وا طا 00 
داع طود یم میس ماک ہچرگ نو رے برا کے می پے اور ای س کو گناہ لاز آنا ہے یا 0900۳ 
کوئی تاح ت نہیں ےت ہے تر کر f‏ کو یا ملام کیا ؟ اک کے چوا پ یں مرکازدو الم نپا کے ار شار 
کا مطلپ ہے ص ےکی سے اورپ اکا مک کالب ورا رل رت TAS‏ سے جک ر صرف اما اطاعت و رار رارک اور 
بجلا ی کے قول اکر گے ہیں کن ھی ربک دال اچاچ کو یکو پک یی ی اور کک ووی ورت 
یش منڈ او اتا ےی کی کی کل اور کے پارے می 1ری کیفیت تاب رم رک فط رر لیم و ںکوقبو لکرنے ۳ تا نین موی لے 
٢‏ کی کالوک ورتا سے اوردا مل ت وت ورام وکیا تو چا لوگ ول برائ کا لی ہے او رکناود می تکولاز مار نے وڑلا ے٠‏ 
اور مات وفلاخ اگی ٹیل ےک اس چےڑکوفو ڑا چھوڑدیا جائے بیو جک ار باب پاک اور اولیاءالل کب دویا کی صقا او میڈ کی 
نا کا کاو شیدہ تین ال کوک ان یت یں او ری کیاکی جرکو ا نے قری ب ٹیش آنے ر ےچ واناد وم عتی کا پکاساشا تہ 
رتا ہو ان کے ہاں مش مل سے یاک دج ہکا تاب برا ہا سے تا اناب دہ کے ہوے برے اعمالی س ےکر کے ہیں۔ 
۱ کیک ان کال دبا برائی کے خا کوک انب لیا سے اور ا کو ا مزا نقلب او رش کاسر رر صرف ای صوررت می مال موا ۱ 
ہے جب ان کا گی تدم راو کیم سے بنا موا میں “تا اور ا کا او کام دنو 7,۶ ا میں وا 
امان د اسلام اب 9 
© وع غدرر ن عة قال أك سول الله صلی اله ليه وسم َلك يا زشؤن الله من مغك على هذا 
لار قال حر ۲ عب قلت ما الاشلام قال م یب لاع و اضعا لعامقلْتُت لاان قال الض٘بُْو السَمَاحَةقان 
لت ای الاسام فصل قار م هَوْسَلِم الْمسْلِمُوْنَ ِنْ لْسَانه وتە قان قلت ائ الاْمَان اقل فالخل حمن‌قان 
ْب اَی الصَلاة فصل قال ؤل الَو ت قال قلت اَی الهجوة فصل قان أن هجر فاگرة ركفن قُْت فی ۱ 
الجهاډآفضل قفانم عقر جاده ارز دقار فلتأ الاغاتاففَل قان جف اليل لأر (روا7(۵ر) 
اور حضرت زو ین ع راوگ ٹیک می مر روع کی رمت ات رل میں عاض روا او رٹل اکبایار سول ابش !ر کوت اعلام کے 
آغ شس اس دن (اسلام ]رپ پل کے سا جح کن ھا ؟آپ کے فیا ایگ آزاد(ا )اود ایک غلا ہلال شی نے حرف سکیا 
الم ملام ت کیا ے ؟ راا یکلا اور ( ا کی کی سے لگیا با نک ہق گیا ں؟ راا ”ہاور اوت“ ` 
شی برک کول سے پا زر ہنا اور طاعحت قرا اد یا تھ مون م کے کہ کوان سامصفران ہے ؟ را ل تدر ای ازاء 
ےلان وئ ہیں یس لن ےکہازائمان می ہش کیا ؟ فر ”ا اغاق یں کہا ا زک لو نکی یی ہے ؟ ریاد تک 
کھڑے رہن ون کیاوک نت اتر ؟ فبای'ی یک ہگم اس چک چھ وروش سے ہار اپور وکر ناخو ہوا ہے میس ن ےکہاتہاد ۱ 
یس کلک نے !رای وش ال ےسک کھوڑر ما رف چا اور ٹوو انی ہو جا نے ہا سب ےا ال ون ارقت 2 
آپ پٹ نے فرب انفش کا کی ےا ) 


پ کا نام ام گرو ہے عنبسہ کے ہیں اور الو اپل کیت جاب هنرد کے E‏ 


مطائ رق جر ۱ “۳ ا " ٴ ہد اذل 


ایاناوز الام پر مرئے واا تی سے ٦‏ 
© وع مقاۆ ننجب لقال سہنٹ ردزن الله صلی للا خَلو ڭۇل مو وی الله +ذ ارہ ند وى 
الخفْس ۇيۇخ رمان غَفِر لۂقْلتَ اف ابیز هيار ۇل اللوقَذَهْهُهْتَعْمَلؤا ا۔(رواہ7ر] 

او رحضرت موازی ن تل" کے ہیںکہ می نے ر سول اشر Ê‏ گو ہے فریاتے ہوک اا س س نے ا کی طرف ای ال کو ی کیا 

کے کو ایل تا شی نی ں گرا رکھ ا تھا۔ ا و ں وق تک از تاتا اور رمضمان کے روزے رکتتاتھا تووم دا جائے_ 
گ۔ نے عر کیایارسول الہ کیا لوگو ںکو وگ نہر سناروں ؟آپ 2 98 ا نک اپ عا ب وٹ وو اد ری شس لا 
رۓ رو" (7۱) 

شر :اس تش اتا کا مخ ے ےکی ا تا ےت کم ےکک میک کرو اوی از تل 
و ےکا وس ےکنا مک وکی سے کے بی ری شش او رج کا اھات ےگا اتی لے جب حرج مخازاجن' نیک نے ای ہنارت 
کوعا مرن ےکی اجازت چا ی آوآ خضرت EÊ‏ سے ادا ہیں ایبانہ ہوک لوک ای بشارت رھ روس ےکر یں اورک لکنا پھوڑ 
رس ل اغا یمیس اہو جائیں او رگناو محعبی تکا رکا بک ر ےک اور ری زاب کے توج ب بین میں 
ا ع دیک بب اور زگ ڈکاؤکر انی لے ی کیا کیہ ون رون کا علق نس طور یسا حب اسنطاععت اور ال راز لوکوں سے ہے | 

07 وی طور یہ شس زکوۃ وع ادا کی استطاعت نیس رتا ہس لے مرف ان فر کو لک وک رکا ری ےج ن افش لا نیس مر 
و فرب رت سے چیک نازرد ک1 لن سد 7 یب کل ای کا یس ہیی سب پرفرل ا ۱ 

.0 وَعَنْۂانْدمان الي صلی اللهعَلَيْهو سَلَمَعََْفْضلالَإبْمَان قال انت ريض لله و لغم لَِسائدؤی ` 

ر اللهقالَ و ماذاا سول الله فَانَ وان بلاس مَاتْجب نف وَنکَْهلَههمَانْكْرللفيكً۔ (روا۸اص) ٠‏ 

٠‏ ”او رطرت موازب ن ہل سے روات ےک انچہوں کے یکرم Bb‏ سے سوا لکیہ یما نک صا اف ںکیاں ؟آحضرت پیٹ نے 

فریایاک ہی ے) تہماری مت کی الد کے لے ہو دو رن وعداوت کی لہ ی کے لے ہو او نم ابی زا نک( لو ول نے )کے 

کر میں مشقول رکو انہوں نے اویچھ ارول اڈ ! اتی کے عاوہ او رکی ہیں ؟ آپ لگ نے فیایادوسروں کے لے وی چپن کر وج ۱ 

اس کے پئ رک رے ہو اور جس جز اپنے لئ زاپہن دکگکرئے و ا لاور وسرو نکی / ائ کر وص “راج ۱ 

۱ نت ایا نکی رین بیس ای ہیں کہ ہرجالت شل ال گی خشفورگ اور | رفا کاحصول اشرو" کی چ وکا کیا کے شواہ ودای 
وار اورا اائ- نر کی خو ورگ اور ا ھ20 ل لر کے ہداز سا 3 و رو کے وہ 
اغلا و اشائ تک عق ا رحا ی وہای طو رک ہر ایک کا تی خواہ بنےاو رلپ رک بر ادر یکی جملا و تر یکو اسای ا اجا جی اگ 
E E‏ و ورس جو مات اج لئے مض تابر اور 

۱ اس پئ اتھور وکرو کے سے صا کوناپن دکرے اور اک کے لئے مضرجانے۔ فا 


باب الکبائرو علامات النفاق 


رواو رتفا یک علا تو کاپان ۱ 
نکی ہر دجاس رد ہک اس بڑے لک کے ا ں سک را بکرے واا \ 


١ 
کے‎ 


مظاہ ری چد بی ORO‏ ْ , طلراہل 


مرن رلت ی روه سز ا وچب ہتاے: با کے اراب پر ٹرآ لن و مريت میں مت و عو و تبیہ کو ریو اس نے 
ارتا ب کوش ریت نے بور مبالضہ ا رکا بکفرسے تج کیا ہر( یی تما ر ککرنے پر مر یت مل یہ و آل ے مر تر الصو 
مُتََمَدافقد 1 ۲ ضس یں نے نماز قا رک کر وک وہ کاف رہ وگیا )یا کا فاو و صا نا ہیر کے قماوو قصاان کے برا را اي 
eli‏ سی اھت وکل ا کے اک ات ہو او رت کا اختیا رک رن ر ست ر نکی چ ککاموجب موی 2 ارات ٰ 
شان س ےکوی کی چیا جال ےکی ا کوکنا کے و شی اکنا ہیں کے اور آل بابات ٹس ان شس ےکوی چرس پائی ہے . 
گی اوروہاسلائی تل مات اور دی ققاضا کے غخلاف ہہوگی ا ںکوگنا خرو می پچھ کنا کہا ہا گاب جات جن شں کی چا ےک حش 
اپار سے ارو و ئ لف ورجات یں شض وا الو ہت کی ار ے اور ایت قا ی لفرت میں اور نويه 7 
کورچ ہیں کن شر تک ین می ال مواغزہ وگرفت اور موجب مزاب ہو نے کے انقبارسے سکیا ںو گی رککت ہیں۔ 
احاد ہش میس ایک پل تر مکی گناو ںا نین وو رتفصیل کے ساتھ وک موجوو یں ے١‏ بک موئ کل کی اہی ای سات یکو ۱ 
جواب جآ تحضورگی رف ے بیان ا آوچایچا اعادیث وروات ڈ لخٹول اور ہج رو ہے موا پر کور ہیں۔ 
شض علام راچال ال ر دوائ ین ےکی وکناہو ںی چ رت رک کے وہ رولو ںے۔ 7 
© اش تائیکاشریک نای یکو ا کی عاو ت یا ا کی صفات شل شری یک رتا شلا اتات ( ر وچا سے ہل عم لتر رت 
تصرف ہ۹ دل مس ییارنے ۰ 1 رین ن ےن برا ٹیش اورلوگوں سے امو رو یئ می کو 0-+- رجہ 
اور یٹ وا چو رش اللہ تما اکسا وارے- )گناه ر اعراروروام انت رتا © نک کون لکنا( زکرم( لواطت 
کرو ( جور رتا ۵ ارو متا اور چاو دکر: a‏ راب ہنا او رنش ,ور اش ءکا ایال کر O‏ سی ا مین 
پھر کی ال اور خالہ ویو سے مک کر © جوا یھنا اور چوا اتا © ارا ھرب سے کرت کر © وتان رین سے اروا 
دی او ن٥ل‏ رکھنا۔ © طاقت و آرت اور قاب حشرت رک کے پاوجودد شمان دیع سے چہاد را © سودکھانا۔ © رر اور 
رواد گے روش کا ہی ران رئ وی او رکا نکی مرا 31 0 و سیکا مال ٹپ DEH‏ باز مروا اران گورت 7 
رک ست ورا © جھوٹ یگوای وا دن کسی مر شرگی کے فی قصیڈا رمیا نکاروزہضہرکنایاروز تو ڑا 7© مو مکھاتا۔ 6 
) مح 7۸ یا ا ا کو انا اور ا نکی نافربا یکرنا۔ © جک کے مو ر شتا رین کے مال سے فرار اختیا رکرنا۔ a‏ 
یو ںا ال نات یکھانا © اپ تول می خان تک نا۔ €۵ نا رک وت د ڑھنا۔ 3 مسلرانوں سے نان لن سا۔3 زات 
رسمالت ہاب جات روا الزام لیا وت رول یاب اش ور ر شتوں کا ڈیا کرنایا ان کا رات اڑا 0 امام دین اد رم مائل: 
شر تا اف رع © خر افو پرکل ک رمق نماز ھا کو ادا ہکرناءرمضان کے روزے :رتا اور استطاع تکااوجو ريد 
| 1 ار و بنا۔ ھا امز رکخمان شہاد کر 6 رشو ت لان( ممیاں ہوک کے و ر ھان فا واھ 
مام کے ا ےکی کی چغ ل خوریکرنا۔ © خیب تکرنا۔ © سراف مم لاجو 9 رہز کا ا رکا بک اد © ری کے نام را کی 
دن وی ۷ کے کب رو رشن رف وفا راتا لاہ قرو اصراروروا م ایارک رن FP‏ کی Af‏ رف را ب کم نایا ا 
کےا رقاب ای برددیا۔ © ارم طہلے؛ اور دو ہے و اول ےا @ ہائے وت زوروں کے سا جے تم 
مولا 3م مالی مطالبات ووا جیا تکی او ای شی لکرنا۔ 2 ور ی کر 0ہ اسے اعضاء پر ملس ےکی عضوو شارا زر 
کردا © اور بش بکیاگزدکی سے سنا و یاک اکل ہکن 9© تز کو لاتا للا اتے سردار اور ام رر 
کرنا۔ © کک ژات اور تب میس فع زک ند ©6 خرور او رکب کے تحت کے اا ۔ چ وکو ں کوک رر یکل طرف با ناک ا میت . 
وریا ھا رے طر نے اور تہورہ رش را 3 کرنا۔ 2 وساررا رآلہ = 7 سان طرف اشزا روک رنا۔ ۵ ٣ک‏ اوی ردي ) 


ْ م جرد ْ ۱ TT O‏ ) لر ال 


۱ ا پے یرن کے کی حم ہک وکنا مت دای منڈا نامک وغیرہ تو ڑ یک کاٹ ڈالنا۔ اٹ ے تن سے اتمان فر مو یکر 
مرو 7م یل ا ت کامو ںک وکر نکی مات ہے لا عدو دترم شل جاسو اکر :ا کیان یکوک یکی ل کیان جاتنا 
تام و ما کسی ملا نک وکا کہا ا یک وی ای الفاط سے قاط بک رجور فکاف رکے کے اتال ہوا ہے۔ ۵ ار اک ےڑا 
وال ہوں آو ان کے زرعیان ارگ شی مرل ہکرنا ۔ ا جا قنکرج رضت زنر 3 غل و خی وکین ے خوش ہر 6 
جانوروں کے ت پر یک نا۔ © اکا ا نے علم کل کنا 3 دٹیاکی من میس اموت ا ردب برک نظ رئا © دوسروں 
ک ےکر ریس مھ اکنا © صاحب خانہکی جات کے یراس کےگھرکے اثر ر وال ہو - دوک او قرغ سا یکر اس اشروف 
اور گی گن ار می ایج کاموںکی اکٹ وشن اوربرےکاموں سے روک )اریہ باو جورت رت کے نجام دیا © ٹل کے بجر 
رن چیک بعد جا - ورو نکراک میس لان - ® ور تک لغری رش رگا سپ شو ہرک نا فیا یکرن۔ 21 مر دکاعورت پار 
۸۵ اشیرمتو مفقرت سے اامیرہونا۔ (م اش کے حطر اب سے مے ت7 توف ہوزا_ ق علیاء او رما ا کی Ors‏ نکر ھا وی سے 

اکر مب شر سپ وی ہس ۱ 


مضل الال 


سب سے ڑ ےکنا 


سے اسر 


0 عن ل عباللونِ مَسْمُودِرَضیٰ اللَعلةقارفانَ باشل ایلانب 4 ثذَاللِفانَاً ان نَدعُوَ نِد 
وَهُوَعَلَقْكقَالَ وای قال ن تفل ولدََ ية أَنْبظعَم مَك قال قان أن راع حَليلَة جارك قاثزن الله 
) تصْبِبْقَھَارو اا ر وَلايقىلۇ ر الس الت < اللة رلا الخو لازز َلاَق ) 
٣‏ ان ن علیہ ٣‏ 
ضرت ت عیدرائل جن حور کت یں کہ ےس بارسول ار 858 ال تال کے نویک سب سے اکنا کون ساے؟ 
آپ پوپ نے فرمایاا ےک رش نے شاا یکو ای کار ھا ور ننس نے موا ای کے لح سب ے بڑا 
"نا ہکان سا ہے ؟ آنحضرت نے ایا ک تی ولاو ای خیال سے مارڈالوکہ و ہار سے سات دک ھا ےگی۔ پچ رای نے چیا ا ے 
بعر سب سے اکتا ہکن سا سے ؟ آنحضرت کڈ نے ربا پا یہک تم ا سے ہسا ےک ہو سے اکرو( حضرت عبرال بن مسحو کے ہیں 
ک4 مار تا کے اکا رش اوکی تد لب آیت ازل موی اش کات جم ے ادئیا ہن لن نما ہیں جو ال کے سواسی دسر کو 
۲ مو نٹ سگھہراتے :او رل چات ا رکو یک رن ال نے ترام قرار ویاچ ا کو نال کیو کرت اوز تہ تاکر کے ہیں(او رج ےکوی اییا 
کرس ے کاو ونام کے وبال میس ٹڈ ےگا)۔ اریم اط2 ۱ ۱ ۱ 
شن سی یر سس ا و یں 
او شرییت نے گیا نکوسب سے زس ےگناھول ین شا رکیاے اور کا ا رکا بکرنے وال اللہ تدان کے کت زا بک ست وجب 


رانا ہے۔ سب سے اکنا شس با کو چا کیا سے وس کو اپے خالقی اورپ ور دگا رکاش شیک رانا ہے اور ان و نراک شع ج 


له رای براش ٹن حورو اوہ شت ال وہر اران ے: آ ب لو حور دہ سر ات یی وو 
انتقال فرماہا۔ 


ستاب رن بر ہے امک ہے تج  .‏ گھ 02 ۱ 
یس عا ےککھا ےکی ری کہا در شش وش رہ | 
ہار ریت کے چو طرے اور چ اال عزف ذات ری تھا یکی عبات کے ے عفن ہیں .دہ ہے اور قحال اللہ کے سو یی ` 
او کک یر را اس ی ول لک ”نیا الہ کب داد اد کیا جا ہے :اک ا رن می شی ال وار او ریا راہ او زی ي را ۱ 
تال عاتو ںوبرا کرنے وال ہے میا اورک گی جات میں فیا وزیکرا کے نان گی اترا ا 
مکی مددکردود غر ورد 4 ۲ 
ت۷ دوسا اتاد ے بایاکیا ےک کول O E E‏ اس ر 
گ٥لاناپپانا:ڑ‏ ےگا+اور ا الک ور تع تک مع زت درن رواش تک راپ یگ زا ایت مر خالاد لر رئا 
لوگ اقلا ی کے توف سے اتی او لا رکو مورت ےکا مار ری ٠‏ دا ١‏ 
) کے ےنوس نے مسا کا ےکر ین لال تی وا ۱ 027 ۱ 
و حر ا 1 ردچ کم 1 یکر ا ) 


1 07 
تبات ی راا 
۱ کت ا قرا اور رو ) 
© وَعَنْ غبدالنٍ غفرو فال قال ول الله صَليٰاللَه عَلَيووَمَلم الکو افرط بل رَعَفَوقٌ لوين ٤‏ 
j‏ رقفل النْفَسِؤ يمين الّْمْمُوس رو وَاذَالبْخَاریٔ فی رز اية انس وها ةالزۉر َدَلَاَیْمیْن الَو س نمي ا 4 
”اور ترت پراش ن مر کے ہی ںکہ رسول ال پل نے فی کی کا شی ر ES IANO‏ تک 
اور مول کاس گناہ یں (جارگی) اور حضرت ! 1 کا رایت جو حٹ مول e‏ ۳ 
بس ہیں زار یٹک 
شن : ”عقو ق“ کے ای کت اما رت ورس تی دق ا لوڈ ٠٦۰٦‏ ا ۱ 
نے کی کم سے فان مان بآپ اوہ کوئی ایی جائے اورت الن وا کے ای ہے وی ےکا ریا باپ لو" گی ازیت یا سے ) 
کے کن اك نکوکفرکی لحنت ہے کے او ربو ل اسلام پا نے کے لے کپ جو بہت مت وکیا ارت 
ہے ہلگ خت ناو طور زی مو اوراظا داضانیت ےکرچ وا ہو ا 
تعر زی می ارشادراں وبا راذنإ تاا ان یش ھا ںان کے ماش اضن رحن نو۲ تم بغو رخ 
ٹین پاتو کو شا کی ہے؛ اور کیہ لن کو وک اوت د کے کر اھ سے مرو خی ےل ن توا نکواریی دک رن یف . 
کے اور ان کے ساتھ پرا دبدکلاٹکرےءدوسرے کہ جہاں تک کن ہر کے ان مال وولو طرح سے اک غ رٹ 
ٰ سے اور کہہے ہے کہ ا نکی اطاعت و فیاردارکرے اور وہ بل وقت اور کل ضرورنت سے پلائیں فوڑا ان کے پا ماضرہو ) 
ا عا ےی وضاح تک یکروک کہ الد کی ف رم ت کاک شرا کے سا تد ےکک ماس باپ انولاد کے حا ہراں 
stat‏ ترت و اس تطاھت کاک گل مرک فی رم تک رت ےتو نکی یمم کر اکل روا جب سے اور 07 
5 آووال ری گی ے ان ہوں اورد اولادا کی ادر کو سپ ال کی رضت واج نین سے اکیاطر وال ریک یروا ری امس ٣‏ . 
بھی اس وضاحت کے ساتجھ س ےک اکر دہ ای کم ام دی یاخلاف شرع چوزوں سے روا یاش رح کے غلا کم ج دی اتا نکی 
٣‏ یو مت می مرش سی + ات اوت 


ارک پر ) رر ۱ لر انڑل 
وي اور لت نا یں و EN‏ کر و ال رح لر کو چھوڑ نے کے ہیں شا ا زی جا عت می شررک 


ْ ہونے سے روک عرق کے روز ہاو مک ری تو اس شی زاو تول یہ سےا طر کا دد اف رہ بان لی اور ا نکی اطاعحت' می 


کول ع ا سے کان چو کی کرد عار ت کک ڈ الوا دی یا کر کے ری ںو ا ن کا کے ںا اکرو ی ی ارت ے | 
رکیل ٢و‏ 0 ا ا کی بی ےجا ری ن شتت می رہوتوا نک انم یدارک راچا 
”یمین غموس" اس جھ مک یت ہیں جس الا کرش بے ہو دزا ول می فل کے ہی اس ط ریا رھ ےر 
خاک م ینس لے فلا کام نمی کیا ہے۔ درآنھالبگہ دا یس اس ےنوہ کا کیہ ےتویہ ”یمین غمو س“'کپا فک ےکی ا مکی ت 
۱ مات یوگ ہی ہت اناد ہے اک رح ون اتی وت بھی ایک بہت اکتا ہے جو الیل کے تحت عفرا پکا سو نناتاے۔ 
٠‏ لاک کرو ےۓے وائی اآول سے ۰ 2 ) 
2رمن ان غار قاشۇ اللو ىلاغاي لم :خی اشع ا ِقَاتِقَلّوا2 مل لماه 
قال اَلشْزكڈ بالله وال خْۇو قل الس الي حَوَم الله الا بالحق وال پت اکل مالي اليم وَالقوَلَیْ وم 
7 ذف النخضتات الاب القافلات_ ۳ ي _ 
”اور ترت الو ریڈ کھت ہی ں کہ رسول اللہ چ نے قربایا کو اسمات جلاک 07 کو وما انار سول ال اوو سات ۰ 
ا ککمرنے وای اش کو نکیا ہیں ؟ فریایائی و او کشر ر © پار وک رٹ © ی چا نکومارڈا نا الیل سے ترام تار وا ےا یکو 
© تما لھا۔2 چہادکے رت ناک نکو پیٹ ا سسیسیسیہ سیل سا 
1 ۱ (فاری 7 ) 
. ھ مسفر و lT‏ 7 ور شر ف تش رک لر ا 


ات دا لمات شش سے کی ایی بات کا ارک اچاب اکر ا یکی زی کیا ےت معلوم ودگاکہ انان مرف کی 


صو رٹ ےک و کے ب ریک مات زان ورل ے ان جا اور افی یرک چیا ہوجاے برخلاف اس ک ےک رکفرکی صو رس ای 
۱ اورک از ہے لم 2 ایک با ت کا بھی اکا رکزدیاجائے خا اق سب کا را رموجود ے و یکشون ہو جانا ہے کپ رعراء 
ک تمر س ہکفرصرف تول ی کے ساتھ خوا یں اش اخ ل کی موچ ب اف روو کے ہیں چنا چ تپا اےے افال پر یکن کم 
١‏ کار ے جس ج فی و اعقاو ی کے یع ترجا کے جاتے ہیں 

کو ٹوکفرکی ہکم اسانیت کے رڈ سب سے پ مادا ےلین ا کی جم سب سے بز ڑچ وہ شک ہے کی دا تھا کی 
زات :کیک صفات؛ ا لک عبادات اور ال یکی موو تتت م یکو شر ناناد رف اخقاوی یقت سے انیو اسلام سے ) 
٤‏ صرح ہزارکی کا انظہار ہے بللہ قرح پر یک بہت ام اویل ووا سے سب سے بڑک بفاوت کی ہے اس ل ےکم خر اتان نے , 
۱ انما نک تی کر کے ا کی فطر کوکفردشرف کیا ہس کی اکور رس پک و ماف رکا چ اب ار انان رن لیت کشر کک ۱ 
تھا ست سے وٹ را ہے نو ظا برے ےکم دہ ای نطرت اور ا میرک اقتا اوا زا 090" وت ان نیت دزلوں یقت 
سے تباقی دب بادیی ےار" سل +0 
۱ ۲ ی لے بور گار کا 1 فور رس کا و ا اچم برک زحعالی' می 
و ک خت زمر کک وی اد خداتا کی پک جقتمش ایک ےکک در سار شادرف ہے: 


الله يفا ا شر رو یس 7 دكين ناغ قران مم ال n‏ 


مفاہ رتا برغ E‏ 807075 
”لاہ ای تفای اس بجر مکو یں کے کہ اس کے مہات ا یکو شیک ٹھبرایاجانے وہاں انس کے سوا اور گنا وکو چا ےکا رھ 
0ھ ] | ۱ ۱ 
ہت چکگ غ رک نما فطرت سے مارت ونی یکم جڑے اکھاٹ چا ے اور السا نکی روعالی تق کی تام ست را رکو موت کے 
اٹ ماد با ہے ررر رآ نکی نظ یس شرف فانحا بر سب سر انراء اور سب سے بر ھگمرہے دیو ا فک رات اور 
۱ شس انان کے ابد موت ہے اس لے میٹ مس جن پلاکت نز یتو کی تقار ی کاک ہے ان شس رک کا م کر رست ہے۔ ٠‏ 
) ۱ نرک 1 رش اور اقا ب 
ای موقعہ بر مناسب س کہ شر کی محریف اور ا یکی اقا مکی چھے تسبل ہا نکر ری جائے؛ شرع قات ہی کے اصطاع - 
ریت می قر کے کت ہیں کہ دای ا تارات ٹیس را کشک کے یاک کرک ا ر و ندا ں کو ا ہیں اض ا کے - 
ملاو کاو و ر ےک و کی نت عبادت کے ال جانے چیہ اک بت پت عقید درکتے ہیں یہ بات یی ہا ایگ س کہ شر کف _ 
لین مم ہار اہی ےش راھ شر کک کی بین بی ا ہے.۔ چناج ضر تک عبرا" لے زجر لوو شرع 
عقا رک با ن کر رہ شر کان وونوں تمو ںکوزکرکرتے ہو ےکا ےک یہاں رک سے ھراوکنرے :خیالی شی ن بھی ا کی فرع ہے 
اور لاناک ائ سے کی کی متقول ے۔ 0 ) ) a.‏ ۱ .3 
صضرت شا ول اللہ رث وہلوی' فریاگے ہی ںکہ ریک اصطااع شس شرف اسے کے ہی ںکہ جوصفات خا پار تھا 
Ns‏ کے اتو تن ہیں ا کو مد کے علاد ہی 0.7 شاب کے کے را کے ملاو ہک رو سر ےک و کی الم ایب ۱ 
جانے۔ با٘س رح دناکی ہر مخ وتار ہے کد کے وی ادرجانےباجیسے را تھا کو اسۓ ار اوہ کے سات یاک ترام 
رون بر تصرف جاتا ے٠‏ یہ کسی دوسر ےلوک مرف جانے۔ شی کے پار لیے تید ر کک نا ں نے ن کرم کے 
ساتھ کے سے با کیا اس ے بج ھکو مال وز رک سحت اور گی ھل وا افلا ں نے ہج ہکویہشکاردیا تھا تو ای کے سجب ٹیل چیا واا 
رار رجو ٹکیا ی روو خر[ ۱ .۳ ٠‏ ) 
راک ؤات اور صقات اور قدا اختیارات می رک کے ملاو ہنی عزن کی یں غ رک کاو رج اشام ر راکنا ان یس اک 
یی ےک عباوت لک کو ای رکاش ریک ٹھپ ردیاجائے :اس یکا ئن قرب و فلت کے ری فر سے نا مکی طح لیاجا کے اور ا لک 
شرا کس ظرمارویاجا ےہ ما یکو !نت کے مانب دمشکلات میں ا سکاام ےک را سے پاوکر سے ےک ہیا دا 
اعدا رگن کے بن دہ فلاں اع فلال رکھاجا الکو ”ش رک فی اميد“ گت لیا رانک کےا رذن یاج سے اور ال ےکی زر 
۱ لی ججائے اپاوجہ ر کے وع اور صرل منفعت کے لے خوراکے علاوہ کی دو سرے سی LE‏ 
حم و ترت میس شرا کے ام کے اک ھی دوسر ےکوشری یکا ہا کے چ کول کے اشآ اللو شنت ن چ خد اچاے اور چاہو -. 
وک موا تقول ے کہ ایی مت کی ماوافف نے آنحضت طا کے ا ای رح کے الفاظ ےتوپ ا بہت افرو کے 
ہوئے او خباا تغم نے بے خداکاشریک کدی او رفیایاکہ اس مر کہو: 


مَاشَاءَاللَه َحْدَه۔ 


چە رن جراچاےگاری رگن" 


۱ بس یگناہوں و بھی شر فک ایا ے: کے مرت نیل دا رد ےہ یی ا کے ملاک ددر a‏ کے ) 


زط جم ل ir‏ 


ا شر گفکیاء اما جانا ےک رکون یناش رک ہے پا قول ہ کہ ر کار ی غ رک ہے ہیا اکیاطظر حم قول ےکی چ رورت ا سے اور 


قار پر ٠ ۳۳ | ) ٠‏ 0,7 
کی عحینت کے کے وک کر ےک رک س کہا چ کک ات کب پھر کر یں ا لے اتاب کی ای ضروری_ 
ےجا رک ہے۔ 
کا وشل گر قر قفر ےد سک تات ہیں کین اتاپ تول سے لا سے 
غشاے اور ان کے 0 کے جاتے می توا نے کرک یل ر ریرضوریے سے عایاء او رو شا ےآ کے ار 
20 کرش نکوچونایاانکو سد یم کرد چکگ ی افعال تراما وکنا گنی اس کے ا کا ا رتا بکمرنے وال کیاد گار 
اور وجب زاب مرکا اور جو لوگ اس ری کے اشحال ہے خوش ہوں کے او رق رر ت کے پاوجود اع اعا کے ا لا بور وگ کی 
ا A Og‏ ان ی وضاحت شرو ری ےک اکر علاء او شاو پروں کے گے ہج اکر اور 4 
کولوسہ دنا حیاوت شی مکی نیت ہے وکا و کو اف رکا ا ےا اگ عبت می کی نیت یں کش ارب کے 
کے وا ی فراطلا انیس چا ر- ضرو رآہلائےگا- ۱ 
اس صرت میس دوس الات جنپ تا کیا ہے۔ جرکے ری علا کت ہیک جس طرح کراور ہا دک اترام او لات تر 


پاپ ہے۔ 


سے اک طرح چاوو کٹا اور سح رکا ی کر گی ترام چ آخرت مبلا تکاموجب ےکا شرع مقار کے ماخ ”اخیای امش 
تکھدا ےکم کر تاک رے دو ای و روک ایک جاع تو ای ےک ہا کو و امارڈ التاچاےے۔ ج پک ںی سے 
کہ ال رس ات ای طر کیا ہو ؟ جس س ےکفر لازم آمو اور اھ اس س ےتوہ کر ےتو ا لکوموت کےگھاٹ تادا پا سے اک طح 
۱ کی مت رش اور شر وبا زی ی م چس کرم ان چو کو ایا رکا اور الن سے روز اورپ کھانا اور کوک وکال و غیرد سے 
سوا لا تک اور ا نکی جال مزق پاتوں ی اعقاو رکا گی ترام ہے۔ ۱ 

000 ن کے مقالمہ سے راوفرا Zi‏ نے کے کہ اکت اموب ےہ نےکر نٹ نے بی 
بزدل اور پت “تی وکاک مین اس مو چ بک ا کو ایا شاعت ددلیٹیکامظاہ روک رناچاہے وا وی نویھ دک کر ہیا فکھڑو 
واوو ورل ابی الس مر موم کت کے رجہ ای اسلا مکی رسوا یکا سیب بالڑا ا یک وآفخرت کے مر اب اور بلک تکامستتوجہ ب کررانا 
جا کے ای لیا میں جماں یی تا ہق سے دویہ ہے کہ اکر کم ایک “سان کے مقاب یش ر و کافرہوں تو اس اوا کے 
ظا سے راوفراراختیارکر نکی و ے۔ ا رقاب ی دوو سے زیادہکی تن داش ہو تچ راگ نارام یس ہے بکہ چان گر 7 
۱ کی ںاو اتکی ےک دا سورت ش بھی یرنہ وکلائے کک مقا ہکرے تواو جا ے پ تر رحوناڑے۔ 


وہب ت مرگ گناہ جن کے ا رقاب کے وقت ابان اق رتا 


© وعَتهقان فان رَسزل الله صلی الله یه َسَلَمَلاَنی الزفیٰ دن تن وهو مۇم ولا رق السار جين 
ترق ۇشۇ مۇم ولا يشرب مرجي يذ ر َشْرَلِهَاوَھُوَمُوْمِنوْلا لهب نة تزف الَا افيه ابْصَارَهُمْحِیْنُ 
يَلَھبھَا وَھَُمْزمِنٌ ۇلا يلاد کم جين بل وهو ۇين فايًاڭم ام تق عليه وفِیٰ رواية ان عاس ولا يقل 
جهن بعل وهر مؤي قان عکارمة فلت لان عباس کیف بتر اتان ملة قال مکذ وَمبِكَ تین اضایدہ تم 
رجه فان تاب عاد اله فکذا وَشْبّكَ ب َيْنَ اضابعه قال اہُزغبداللہِ ايكون ھٰذا مهتا ناما ۰ کن ل 
ززَالَبْمَان۔رمناظ غار 
”اور مضرت الو ج ری کے پک رسول اش ج نے رازم ا ی رتت ایک انان ال یرت 
ْ راب جن و الج ے شر ب پا ےلو ا کس وتا ي٤‏ اانا e‏ اور تا ار ارازگ 1 کو کل ھتاب 5 7٭ا 


مظا کا جدھ ۱ ا ازین جل اڌل 
٠‏ ہوئ وة ہیں ران توف ددہشت کے ار ے بے ایس ہو جات ہیں اد تا وار کے علاوہ ا بیج ٹس از کے )تو اس دقت ا کا ۱ 
ان پا نیس ہت تم (ا اہر سے )و( ارک سم ) اود ابن ای کی ردایت میں یہ الفا کی ہی ںک کر نے والا جب 
تق یکا ےتو اس وقت ام کیان اق فی رجتا۔ تر کے ہی کہ مر نے حضرت ادن یال سے ای حد یٹک نکراپلاگا 
ہے امان اور ہکس عفر عكکر لیا اا سے تو انہوں ن کہا ای یں ( کہ کر انہوں نے ات ددنوں م ھوں کی انگیاں اک دوش 
۱ داش لیس اور یھر ان انیو ںکو ایک دو ری سے لیر دک یا اس کے بعد انہوں نے فریایا! اگ رد تو کر ٹیا سےتو ایمانا طار رت 
7 جا اوا ےگ گر انہوں نے ای شید کور نیک دو سرک میں ا لک ریا نام فبد الد شا ام قاری سے ہا ےک زاس 
می ٹکامطللب یہ ےکی وہ شش ارقیکاب محصحیت کے دقت مڑک نکان یں ر چا اور ایض ےادا کاو رک ہے ری ۰ 
شر : جاک سے بھی یکی ڑکا تلب ایک لے حرا اور یزو خر کی ماد ہے جک میس صرف ایما ن کاو ر رسک ے٠‏ 
ایا کے ماگ یکو : کی زر انرا ڑ چو ےک اور کر لے تو شب م کن اک نکاردادار موتا ے !ورد تور امات ای رواشت کرت 
ے٠‏ چاچ ودب درن اور کنا کا حریث لامش وک ہو ایی تائ این یس ہیں ج کاخ فور اما نی حالت س یں کر ۱ 
سا اد مر اناعالعٹیے کاک ر کاب شرو ریما ےک اوح رتورایان! بس کے شاب ہے رخحصست+ چا اے او رچ ریپ کان 
کے ا گناہ ناوم وش رمندہ ہوک رن کے لے وی ول سے توب یں ک ریا با نکی دہ موا یکیفیت جو ا رکاپ کنا ہے کل کو 
اک ی امن کے قب یس واب یں آل ای صورت حا ل کو حر ابزن عاس کے اتی انیو ںکی شال کے ر وا یا نون 
نے لے ا نے ایک ھ۔ ےد ووا تد کے چیہ ۰ ش کیا اور وکیا کہ ےکوی اکا ب یت سے شی کی حالت پت زرریاك 
لی نسکتتاب می ہیں پچرونوں نے ددفوں بغر کہہے میں کیک کسی طرجے ب تد سے پچ سے الک م وکیا ے ٠‏ کی 
ا سب مصیت کے وکت لور ا یمان مو کن کے قب ت ید ہو جاسما ہے ١او‏ رکچ را ول لے دو سرے بن کو ایک رو ےل 
وا داور آلہ ل وھ پچ رایک دو ہے سوا پوس س ایا رب گر کن ار کا کید یت کے اور کت رک لیے 
تو کانور ایمان می کی رع ای لہ دا لآ جانا ے۔ a.‏ .ں رر 
١‏ امام امن ایا شب نے لکداے ٤ک‏ ار کاب یت کے وقت ایا کے بال د رس ےکامطلب یہ س ےک م رکب حص تکاس کن 
نہیں رد جات 2 0:س کر جات ہے (ت چا ا سن اورک عا لام ارگ کے ول کا ہے جور وای ت کے آن ری نر سے جا 
یاس ٰ ٰ 
)ونای فرارةقا نق رن الول اعرسم التي قلات زفشیورزمام رصلی زغم 
) انسلو ثم اتفقا إذاحد ت كدب و ذاو عدا خف واا من خان نعي 
او ر رتاو روک اڈ کہ سرکارددعام) کے ریا متا کی نعل یں اس کے ب سا روات شاا اطا 
کیا اکچ دہ ماز ڑھھ اور روز کے او رماع ہو کاو وک یکر سے اس سپ سی ری لیر وو شن ہیں (و دنین میں ے 
ما) جب باب کر ےآو وٹ لوہ جب ور ہککرے تو اک کا خلا فکر ہے اور چیپ ای کے بای اہاشت رک جاک ےک ای 
۵٥‏ اک کچ ٰ ٰ نت ۱ و 
شرع : جب نکوئی املا یی انلالی رقار ےآ گے بڑمن تی ہے اور اشرو پر ا کا تس ط چنا جا ے قو اس کے تطقن اور ۱ 
7 نین کے در سیا ایک تی را طیق ہبی پرا ہو جاتا ےی ای کقودہ لوک ہوتے میں جو انل تحریک کے قل جمٹوابن جاتے ہیں او رکال 
زی جال وو گی کے سخ ال کے دار٥‏ او ا طاعت 0 ہا ہیں۔ ال کے مال مردوحراطقہ ای کا ہوا سے : 


-_ 


ہیں را 


٠‏ اي ا ا يال 
یک کل مکی الف کرت ہے ور زیی پک طاقت اور تام تر وسال کے ساتھ علائیہ طور پر فیک کے واغیوں اور عامیوال کان 
مقا ی رجات اور ان دوآوں کے در مان جور یق راا ےڈا رو پا مشت ازاون تل و اہے جونہ ا A‏ سے 

ئی سنت ںاور کم کا تاشت پ کو قادرا سے ہیں دس رع کے لوک زی زق ھی و گی ات ابق قلک رات بی کے 

یح یس رھ یں لیکن جسمائی طور ی عاصیا یی کی صفول یش شال ہو جاتے :بی صورت جال الا مکو بھی یں کی بر سل می 

7 زنر کے بعد جب رڈ زا کا ڈنغاز ہدا اور کیاکے ماھ وکوت اسلا مکی ری العلا را ر ےآ کے 

ڑھگ اور ان اسلام کو کی طاقت وکر وکت میس رن ےگ یو تیر مق پی رام وکیا یکلہ س۳ بی ر فتوو: شوگ نیب لوک ے 
جنہوں ا ےکا ل سرن و اغلا کے سج و کوت اسلا مک وقیو لکیا۔ اعلام او ربق راسلام کے قرا کا رھام ینا تو شیپ نت راو 


E )‏ کی کم سے اوریاری وای وراج سے دم ھی کے ان کے تاب ر کوبت ان لو ںکی گی تجنہوں نے عونت اسلام وول 


` کے اکا رک روشا اور ای کی کر کے وععوت ملا م یپ زلو ر قالش کرت سے ان لوگو ں کو ات وخ وک کی ی کل 
او تام موی سال وذ را کی پات پا ی کک چنا مہ ان سا مرش رای سےکوئی اراح فیس خھا اور گل اخلا مکی 
القت ساتی طور کسی خو رز مان کا باع گی ٹن کی لیکن اب مہ آنے کے بعد وغوت اسلامکااحول دوسراہ گیا ری 
ام اکا سے ا ٹیر یی شقن اور واو کی نید دم کی سے اضافہ ہو نے لگا طاقت وش وک بھی ھن گی اور ای فور بل 
اسلا مکوخہ ےکی لن لگا ازا اب اسلام کے مین اور معان زی یکو کی م راو کی کل بل ئی کی ۔امہنوں نے سل پیب کہ 
ظا رتو اسلام کے نام وا بن چا لاو رممطراوں کے سات رکو کر ات دروف ورا اشن ملام ھی کافروں کے نوا ہو بیرف 
حاترا تکار روا ول کے وراچ ر وت | ہلا راہ کاٹ جھانے رہ چا یی ے ففال اد ونورا طح کے 
کو اسم میں شاش ٭ کیاکی ای کوئی ش یں ج کی کی وی کے لے ”تفا“ سب سے ڑا ات وا 
۱ اک طرح اسم ےک مس یہ طقنہ مان سب سے زیادہ فقصان رسماں امت ہوا اترام م تو ان مناضشی کرو چ ل الوں کے 
سما نے پار جب ا نکی منافقاشہپال سی او زعیارا ہکاردائوں سے 1سا اور سلاو ںکؤڑیادہ تمان جانا نا شور کیا اور الام کے 
٠‏ خلاف ا نکی خر نف رک تمالم ہونے کارا نک یتیں سا ےآ اذ رچ رتوا ی میق کیا ی اہی حسوںکی ا 07-21 
ام تقل ایک سورت * انا شن“ ازل کي 51 اک کے لاو“ می کرش جا یا اتوں سے را کیا اور ا ی ری 
) روایول اورا ارول سے انون لے پاي - 
یں 


ہس لف 07 یط ”ھان “کی 1 ۰ تامارک اق اور وق 
غا ےکی بظاہ راش یتوحید: رسالت فرش و رتفرونشرکے بختقا ورک کاو عو یکر اک انر راان رام اعقاو مسفرات کالپ رانور ٴ 
اروا گرا فمضم ڈناگ یی دہ فاق ہے جوآنحضرت کڈ کے رو رشن تھا اک نفا او ترآ پیر ےار بھی کہاہےاود اک نفا ےہار 
ا ود آل کہ ووزغ یں م انی نکا کان کافرون سے بھی ہے ہکا یکر ہو اک ازع مناششین کے جووادات وخ ال اور غور 

۱ یق ان کی ناق کا اطا کی جانے لا کرک ان می س ے اکرش وی یں جو انا نکیا خلاقی اوی نک یکو عیب انار 

ہیں جو و سنا مکی كظعمات؛ زی اض ال اترا اور بات و دیات کے مور منائی ہونے کے سیب یمان و اعلام سے ورا کی می ل ہیں 
کان اچ جب لاو ںکی دی زنک ناد زا ہوں ےا با ںکواخت دک شر کر دج اشن مام 
امد تو اریاب:صطلا نے تفا کی ایک :وشن کی وا سام ی تاق رکا ٠‏ 

میں سای سس سی سو ایت اف : ملب ےک بات چٹ یل درو 


ار دد ) 1 ا ۱ : لد ال 
ون اتا ر گرا سیسات سن 29 72722 ا ہا ہیں نک نکی 


من یس الناکاپایا جانا وپ سے ںازا اک زامان راتت ٹراش طور ران شل سے کیرک عاد ت غار ےتآو ا ںکوڈوڑا ایا 
سا بکرنا چا ہی ادر اک عات سے پھر حا لکر اہ در آغرت مل تخت مزاب بنا ہگا۔ ] ۱ 


م ت بنانے والی ار ہاش ۱ ٣‏ 
0 عن عبباللٰریی عفرو قال فان رول الله صلی ال ج وسم رخ مک فر كان متا عایض رمن 
91 وخطلةمنهة کَانَتْفَيْهِحَصْلەمِنَ الفاق حَتىيَدعَھَا اذا الْْمِنْ خان وا رادت 2) ۇاذاعاهدغدز 
َاذَاحَاصم فر نعي ۰ 
”اور شرت کہ راڈ یں وکتے ہی ںکہ سول اد چک نے فربایا ا تن ان 
) ےکوئی اُیک بات بی پا جا ےگ اھ لی ای یں نذا کی ایک فصت پیر امون ایک ا۶ کو پچھوڑتہ دے(اوروہ چار یں انا 
جب اس کے پا اىاشت ر کہا ونیا کر سے :جب بات کر ےآ موت لوٹ جب قول وا کروی ک خلافکرے 
“اور ٹب یڑ ےترگالیں کے۔ ار سس : 
نر یا ںی ففاقی سے رود کی تھا“ ے می ور مومع ا 
اور سے کور کی تفا مس ہنا سے او رما مال کیا چ او راک ان چاروں شی سے کول ایک خلت وعادت اس کے اندر اھ ۱ 
اس تو جا وکہ ال ٹس فان ایک خحصلت باہو سے ازات یا جا ما ےک یس کے اتد رکوہ ہے ام خصاتیں تع ہوک ہوں یا 
: ایک خلت ۲و وہ چان ےک وب ا ںکائہ نکی ما کے مال جوت ا اہے. اکرو انا دو کرت ہے تس کے ار ان 
) اس شی یں سے اور اگ ردۂ اید نیا دآ تک لان جانا ےتوا بی کے کے رو ری ےکم ان بات ںکوٹو ڑا پو ڑ رے۔ 


ہت قشل 
© وَعَنئن غعُمَرقان‌قان و وت سر رین امین لہ یرالیه 
مو الى شخ ههر روہ لم 
”اور ر اا کر ر بے ہی کے رسو اٹہ Ê‏ نے راا م ټک شل یمر یکی یا ے جو رو وو کد رانا یری 
رل ےک (اپٹنے نکی لان میس میس طرف ہما ہے اور ی ای طرف۔ Et‏ 


و حلطہ/ل۔+ دحلم مطسیقجەب :تن 
کیہ ال کے سا چوک صرف دنا کا لا او مال و جا کی تقائح تک تھ ر ہوا ے اس لے وہ بادہعصفدت م کر کی قو سارو کی 
۱ غو میس اکر نایا | أو" مہم hS‏ وص سح 


کیہ اش بہت موئہے۔ 


اأص شل الان : 


© عن ضفزائ لن عَشال قان تهزوڵٍصاجە هبن إلى هدا اب فقا لأ صاجبه لا تقل نبي انل غك 
: کان زیخ غين فا ززن الله ضلی للَّهخلبہ وم ممالا من تنج اياب ياب فقا رمل الله صلی ال 


020 ۸2220۰ زار وتشر لی فی ای مْشُزالی ذیٰ | 
سُلظان ل قله ولا نہ ۋا ولا الوا ازا ولا فوا ُخصن ولا تولا رار يوم الرَّحْفِ وعَليكم حَاصَة۔ 
الود ان لأ عدا فی الكت قان اَی وَِجلیه فا هد انك فا زَفَمَايبِمکُم ان أ قبعُوْيَْٰ؟ قال اِنَ 
دَاؤذ عليه السا مدعا ربە ان لا يزامن ره وا ون نخاف إن تَبعُنَاك ان َقُعْلَمَا هزد دد 0)0 
" حضرت صقوا بن عسمال گے ینک (ایک دان) اکور نے ا سے ای( ووک )ای ےک اک اڑا می و کے یں بیس 
ےک ا نی ن کب کیرک اکم انہوں نے سز نلیا نہ یہووگی بھی کی ی کن زں )تو ان کی چار یں ہو چامی گی شی 
خوگی سے پھولے نیس سای کے )بہرعال دددووں ر سو الٹھ شلل کی خر مت مج لآئے او رآپ پل سے ووا اج کام کے با دمیں 
سوا کیا رسول اہ چا نے راا کی کو اکا نہ کرای رک کرو نا کرو تک جا نکومارڈالنا اللہ نے حرام قراریاے 
اک اک ی کرو کی ےکا وکو کے کے لے اکپ فل ازا یدک کے امام کے امت نے ھا چاوو ت ہگھرو: سور کیا 
پا کوان گور کو( ناکی) ت د لک مر ان تک کن م کوچ نہ وکھاڑاور اے ورو ا ہار سے لے تا ا طور یراجپ ے 
کہ نوم خر کے موا مس اش ای ے)تھاوڑ روہ راوگ سک ہیں کہ ( 888توھ آحضت ا کے ات روم 
لے او رلو نے چھمکوابی و کے ہی سک ہپ نے وای ی ہیں سرکار کا ےرا زجب یں ری سای 2 2700 
ج اگ وع صا ام مان ہے؟ ان ہہوں اٹ کہا: :یقت ہے کید داڈرے ا ےرب سے رعا کہ ا کیا ولا جس پیش ' یا ہوا اکر لا f‏ 
ےی اک رپ پیٹ کروی ري وی یں مار ڈایں گے ر وداد ما : ۱ ٣‏ 
۱ تو : ضرت موک علیہ السلا م ہیا اسر ای لی دا یت کے لے ال کیا جانب سے وتاش تشریف لا تھے نہد یکی یل کے طور بر ۱ 
ا نکوچودوڑے کے عطا کت کے ان لیس میک اء تی وا رت موی علیہ السلا مکاسب سے ٹر اسم ٹزو تھا کی کے زر 
وس ڑم ےکام انام کر کے ے۔ نا نچ جب ف رکون کی ہاش سے ال کے اور ا تمانہ کے ہو ر سماتروں اور چاد وگ رون کے 
رر مان ستاب ہاو تھا نے الکو عصا کی کے رج اس رح کامیالیعنا یت ران یک ان چاو وگروں نے چپ ان کرو چارو کل 
اوت م سیو ںکوسانپ بتاک من پر ڑالا تو ضرت موک صلی الام سے خا ےمم ہے اپناعصا زشن ر ڈا ل دیاش نے وت رک 
ایم اورغیت اک اد کار وپ وھ کر تام سانو کو ليد اک فرع ان کاد وسرو جر ”برشا “اجب نضرت موی 
۱ علیہ الام اپار ست مہا رگ * بش ڈا لکربا ہکا کے توود فا کی اشن رشع ائیس 00 رول کے ر پور جب 
اناو راد را ست ریس کی تو خیرانے ا نکویلائے عام یل وس رع اکم ویک ان ر تیا مت کر ری اور ان کے پچھلو کی سر اوار 
ںی کروی پھر پو کل جب ا نک سی اورافرایال اور رار تو لن پراش م کے مزاب کے جانے گے۔ مشا بارش ان 
کرت سے برساد کیک طوقان نے ا نکی یران ےگیقوں ڈیا لم رک تس کوج سے ال نکی تار کل تاھ وبا ہونے 
01 :ا ان کے خلوں می سک نکیا گادیا اس ےا کے علو کے ایا کو کر رور دی اك جنر کفکاعذ اب مد یکاہ انی 
برچ نوا وکیا ےکی :وا ےک سگ بی میک ہو گے او یھر و نکال خو لر راا الہ جب سے تم سے ۱ 
امال یں حطرت موی علیہ الملا م کے سے اور ا نکی نو تکفا تٹایاں آں۔ ۔ 
ای میٹ میس ان رولوں یہوداوں نے جن فو دامح اام کے پارسے من موا لکیل ان سے یا تو وی ام مراو ے ہج 
شرت اچک سے ان سے ار شار فا پا پچ انی راو رت موک علیہ الملا م کے اک و زات اور انوس کے بار شی کر دو 
ا فان بین سای راو یکی سیت سے مشہور یں حضرت ل کے وور لاقت ہیں اک اتال ہوا۔ 


تار جرد ْ Ia‏ ۱ د ۴ ۲ لر اڈل 


ہت جال پچ زان مت ے؟ FY TPIT TEE‏ آفحضرت کڈ ےے ا کار 
اس یج ہی ںک یاک یہ قرب نکر ںیل کے اتم موجووہیں اور جو ضر ری اام تھے ا نکا عم ا وجار ا ےکا کے سوال کے 
جوا ی جیپ ان و و ں کا اک ٹر اکر اگ رپچ رال نک زی شرف سے یہ اتک دس اوررا وی ےا کے مہو ہو ےک وج سے ون کا 7 کی 
کیا ری 1س خاص مکی پات جو خضرت نے کورہ او وام کے غلادہ خا طور ی ورلو لیکو دیاتو ا یکیل ےک ج طرح ٠‏ 
۱ تم قوموں کے ہے ہف ںا ایک د عیارت کے لئ حرش جا ای رح ہورلوں کے لے ھی شحف ادن عبات کے لے ے می نکمردیا 
یتما اور ال و واا لے وہ! ي دل شا HÎ‏ خو ل راکرس چوک ہے قوم غا رکاغا شو اور شغف ا گیا س لے 
ا نںکو اس دح شکار سے کک کر وکیا لیکن ال قوم نے ا مکوکئی ایت یس وک او مخت کمانشت کے ہداس رن مھ ی خی کا ' 
: کا کرنے کے راک ھاب سے ا نکوہار ہار متت اگ الین جب نیس مان تو ہن زار ا نک و مخت مزاب س جاک ااا اں لے ۱ 
رث ت کا نے ون ہوزلو ںکو اس کے ہار وٹ بطور غا سک یدک یک تم اس واب ل ٹس ف راک کی ہوا حد سے یوز کرو اذر : 
ای د ن شا رکیل ےکر دیاکیا سی ای لے ای نحت پک کرو ور ا لح مکی ناقری م کر و۔ oS ٠‏ 
ان ہورلو ںکا 1 آحضرت کا ا گنا غاک رآپ پا رما تی تیاور ٹیل ورصدق دل سے نیس تاک ا 
م کے ہار اوزرامٹراف کے طور یب تھا۔ مطلب کہ ودل یں نے از ہیں شک ت کد کی مر راھ یاتھا اور 
| وونوب ہا کہ مر واتار کے کیچ ہوئے ی اور رسول ہیں کر نکی تی کہ سج مل کے باوجود ا وقول امک ٠‏ 
ھ ۴7 سول اور حصب وٹ وع ری نے ال کو اتا تھا ار ذیاتھا کہ ا کوپ کی سا کی راو نظ یں یی ی۔ چنا ان 
: دونیں یہو ولوں ےکی اس م وت یجس ا نات یکی اک نے ما اخترا فک ریا اور 7 سر واتعائئ کے ی اور رول 
کرو اہر ےک و مہوت رپ کمک اقترا ف کر ناوجود ران کے لے اٹی یں ہو سار ان ولول یہو دیو کا ٹاک حضرت 
۱ داڈدنے یہ دیک اہ ا نکی اوفادیس پیش ای کی ہواکرے اود ا نکی دعا چوک یق قبول ہوک وک ال لے ا نکیا وی سے 
کسی انی ہد کی نی ے اور جب و ہنی ظاہرہوگا ورام ووی ال نی کے تال وک رک رش وکت دنلب پا یں ےتوپ رما ری شاصت 
ےن تام وی یس انس جرم یل مارڈائیں ےکلہ ک ےم ب کاو کیو ں کو لیکیا۔ انس خوف سے جممآپ بایان 
کیل لار سے ڑں۔ اہ رہ ہے ان روآوں یو دو ن کا صرت واؤر ا یطرف ایب فاط با تکی لسم کنا اور نی طور کہ ایک 
روش اورواہم گیا ضرت اڈدسے ہز دا ہیس کی ا وروا سس طل رک دعا اکرۓ؛ لیے مہوں نے وق آررایت اور زود : 
یپ رکرا اک مھ بل ام ن ہیں اور ا اون تم دیو کا نا ے۔ ٰ 


وہ ین ایس جو امان ی یں ٠‏ 

HO .‏ تس فَانقا/ دزن لوی لاغلی ول لاڈ بن اض انان لكف عفن ال اللہ 

تكقرة بلب ول تخر خة من الام بعل وھد قاض أبعي اله إلى أن تقايل از مو لجان د 
بط جَزرْجَاروَلاَعَذنْعَادلِوَاليمَاؤيِلاَتَاِہ(ر:ایرائن ۱ 
”اور نقرت ار 4 ہل رسو لالط تا 1.9 یں ہیں اور صلی 
اص کر نا 07 سے ا لںکوکافرم ت کہو اور ںی کم لی وجہ سے اس بے اعلام سے مار ہو ےکوی ا 9) جب ۱ 
ےک الہ تھا نے کے ر سول اکر پیجاہے چا دکیشہ کے لے جا رک ازس ےگا یہاں ت کک اس اشمت کے آ a‏ ) ۱ 
rS‏ ار ےک بارال (مادناہ] کے بل ای ام تر الہ 02029 ٢‏ ایک ور شر ی ایا 


مظاہ رک جرر ۱ ٣ 9 a‏ ۱ لاقي 


۱ ااا۔-' "اورا 
اش gE‏ مطلب پک ا ر یر سز ) 
کر مسلا کنات ےنا ویک وہ وجیرو رسال تکاافرارندکزے اطخ سی مسلرا کو مرف کی دا لیو ںکی نا کا کنا کے 

بم سے جب کی کفکہ وہ خی ہ فر ےکا الان کر ے پس کنب ( یناہک وچ سے ا سک وکافرمص تکہو کے الفاظا میں تو 

”ارچک ریچ کیا ھک می کرک مرگب ہوا رادو کا خرو یکیوں د ہآ ہار اتا ے اور ولا 
ین اشام بعل (ادرن رکیل کاو چہ سے اسے ار اسلام رار وی کے الغا ظا ( ڑل کی تردمے ہے ج گے ہی نک بندہ 

ا یر کے ا ر کاب سے غارچ ازاسلام ہو اتا سے اکر کافرڈیس ہوا مرک بکنا کیو کے لے وہ ایک در یال درجہ نے ہیں: 

£ ی توا یکو سادا ن کے ہیں اور کافر بہرحال خارجیوں اور متزلہ سے عت ر موچورو رور کے ان مسلرانو کو کیاکی می کے 
آئنہ مس ایتا چ رہ کنا پاس ج کہا زی کے کارغا سے چلات ہیں اور ات ےککتب گر کے ملاو د وعرہسے قرام لدا نو ںکوہے ورو کر 
0+0 1,2 شزا بض ا او رشان خواہشات ےت نہ صر فعا“ مسلماتو کوک علا عق اور اولیاء ا رت کو 
کار کے سے ا رٹ کےا ن ولو ںکو مر ے ول ودا سے سو چنا جا کہ جب لیا ٹیوٹ نے وای سادا ن کو کک کن سے 

مخت عفرا ےتوچ راب ان دی اود پیا ا سلامکاکا ہنا کک زیو ں کم عمج بے کنر مت و اشا عت می کز رتا چ 


۰ ارچ ا نکوکافرنہ کے ا کو کی کا کہا اکا ریت اور فریان رسمالت ےکا تہ سواہ ہے جس ۴ نھ اہر هک زاب ٠‏ 


غد اوئ رک اور سرا نآخرت کے علاوہ اور پچ نہیں کل اا 
O NATO‏ 
ہے : ای پارہ کی ار شاو و ت کا مطلب ہے سے ہگ اپ روس 9 و ات راو رکا کی د )کے اہر جالے اور 
ٰ ۱ٹ 7ھ 2 لن ہو جانے کے بعد سے اس وقت مت کک افرش تمت کے ریپ جال مارانہ ہے یاجوںج ماجوج ظاہر ہو 
کر کے مات تہ اتر ایس اور ے زو ےزین دن کے ایک ایک صن اور مگ ے پک تہ ہوجائے: جمادبرابر جارکار ےگا چھادکی 
) فزشیت وو ایت اس صورت شن کی م یں موی ج ت کول اسلا ی سر رہ کلت قاو جاب رہ اکرو شان دن کے خلاف دہ جیار 
کا اعلا نکردےتو ا لکوبانا اور ال کے ہا کے ہار شریک ہوناش ری ورپ ضر ورک وکا یہ اک اس ک ےنلم وت رکا ہا ےکر 
ماد یش شریک اور بر کار نے سے اکا رک دیا یا ای رع اک کن دن قوم کسر راہ او رہارشاہ اق سے عادول اور تتف مزح 
ہ وتوہ جن دک پار شا :اعد ن ذ السا کا باعٹ موتا سے لیکن الام یش وکت بڑھانے اور دی کالو ل پال کے کے لے اس عاول 
شاک توم کے خفا ف کی چا خی ضروری قر رفس دیا ا٢ا‏ یری بات تقر اعقاو وشن رکا ہے مت یا نک ساپتی کے لئے 
جس سو سی سو جس بے ۱ 


س 


2 1 


انگلبزاکرتتھانرآھے 
9 وَعَنْپیٰ هُرَْة قال قال سن اللہ ,صلی الله عليه وَسَلَمْإِذًا زی ابد حرج نہ یمان ر فۈق )2۰ 
کَالطْلَةفاِذَ خَرَع‌مِنْ ِِك ؛لعَمَلِ زَحَم الَيهالايْمَان۔ (رداہ ارگ دالوراڑد) ٣‏ 
”او رحتضرت الو ہررہ کت ہی کہ رسول اش صلی اط م نے قرا یاجب فدہ ارتا تو یمان ای سے گل جا اہ اور ا کت 
بک وت اور روپ وا میت عتا یا ہمان اک کر او آ۲ چ" اف اد ۱ 


۔- 


اہک بر ۱ Ss‏ ) مزاول 


تر اقطان تھی ےا مت ایل دڈے ہو فیالے ی کہ این رک ال سی بھی ھیں 02 
ساعد ایک جیا اشن نیس بن کر ےآو ا سے کے٠‏ نظ کی سںآنا۔ اور ا حا سے یہ بنا اور ایک نایادونوں برابر ہو جات میں٠‏ 
یر وکا ےش وو ین فرقی یہ ےک ناما ہو کی ری بی یں را اور ہنا اگ رجہ رو ورتا فلاف * یوج سے دو رن یکا 1 
ری یرم ا مو ون کے وزارت رجب یت و شلاات کا ھاب جانا ےووہ کک کاک شر میت ا رطاع تگال 
اتا 
۱ یں لے 2 ہاوی و 7ب e‏ 
کراے بی ”یتک سے شاو ان تاورب بد دای میت کے بعد دق دل ےو ریا تر ھاب ممیت 
پاک ہوپاتا کے اور لو آور ایال لچ گے آلا( چان اسنہ 
1 وا الثَالت. 
) | حضرت ماز کور باتوں کی وصیت ۱ 
10 عن ما فان اوِضانیٰ ون الله صَلی الله عله وسل بعر گَلمًاټ قال د فرك باللهِ شيا وَاِن قلت 
) وَخْرقتَ وا ن وَالديْك وان مراك ان حرج مِن اهلك الك ول ترگ كۈت عفانم تلذ 
صلا م مزبَة معدا ققد برت هة ذه الله ولا قشر بن تیار اه رأش کل فاحشة وا سی 
الْمَْصِية حَلٌ سَحْظ اواك یراز من الَف وَإِْهَلَكَ اس ودا اَضابُ الاس مَوت وَاَنْتَ فيهم فَالبْتْ 
افق عَلٰی عََالِكَمِن ولك ولا ترفح علهم عضا دباو فم فى اللو (ررادم. 
اور حضرت الہ کے ہی کہ ر سول اولمصلی ا علیہ لم نے کے دس تو ں کو سیت قریاکی چاچ فہای: ۰ اش تیا کت ےکی 
اور یک نک رتا اکر چن جان سے ارڈالاجائے ادر جلادیاجاے © ہے والر ک٢ا‏ نکر اکر دہ یں اپے اش اود ال ٰ 
مود سے وی © جات او ےک رکو ذش راز د چوز وک کچرق ف انراز ھوڑ و چا ے اللہ تداق ای سے ب رازہ ہوجاتے ہیں 
شراب مت بی دک کہ شراب تیم راو کی چڑے ئل رکی نارای او کنا سے یک کہ نافریا یمر نے سے الل ہکا غم آت آ٣ا‏ ہے۔ 
© ہا میں شتو ںکوہرکز ین دکھلا ؤار ج چا سے ات کے نام لوگ پاک ہو ای ے جب وگول میس موت (وباء مورت 
یس کیل جائے او رم ان شس موجودہ وت وخا ٹر م رو ی ان کے در میان سے پھاکومت ۔ © ا ال د ال پر ایی صب کے 
مان خر کے رہو۔ (۵) ادا اباڑ ا ان سے شہ ٹا © اور اللہ تھا کے معا یہ جس انیس ڈرائۓ رہ وی اگ و عیال ٹل ے 
یکو زان اتا یا بھ ار لناضردری موتو ای سے پہٹی ث کرو اور ال گر ھی و ںکی شیحت نے ریاکرداور یت کے 
اجکاس ومک لک کیم وکرو اود ا نکوبریی اتوں سے چا ےکر کرو "رام ( 
تریغ :رک اتی برائی کے اپار ےکس تر ر خط راک ہے اور اش وی حیثیت ےی بلاکت خی ہی 
میا الما ےک اب پل نے حطر ماز ت اکا ا بھی خر ہیآ امیس اک یڑا 
۲ جا او وگ یک رتو دی کے سوال می اپنے می سے ایک ای مت اتاک موت کپوا کے لی راپ اعقاو گی کے س اقم 
رن اہم یں کی نش مل ہ کال ےت کہا جانا کہ حضرت مواز* جک ای رت کے اتپا ر سے شر تکی پروی مس انی 
ست جے اور سی بھی ستل کی بل وگوم تتا ر کے ے خو اول بنا تھا انس ےآ خضرت ج ال کے حرج اور ڈوشی کے 


تار تس 7 و ٣‏ ہہ بئی 


ا رر ایت کے ا ھی سی س شس کا اظہمار اک موت گور کرت و سے والا او 7 ۱ 
CSE E‏ مم لیے اکر ے بطل رل مان 
ری رع موجوورسے۔ ”وال ر نکی اطا عت و فراتیو ا ری کی کی امیت لیر ا یکو تلاپ وکر ےے کے کے بطور پال ڈراگ یاکہاگریاں 
اپ بین تہارے امل دعبال سے انگ ہو جا کے ا ا ہار ے ال و اباب اور ملاک د اداد سے وستہردار ہو اد کان اعم ری 
و توا مکی اطاع تک روہال پارے می کی اکل سک ےچک با با پکا ہم ماشاواجب ‏ میس ےکک رح وتسان میس ہلا ہونا 
ازم رآ ئے۔ ”ناز کی یت جنکانے کے لے راا الہ اک تم مانا ےکر فرش نمازچھوڑد کت یچھراٹ ےآ پکوونیا او آرت 
کی رار سے بام کو وال ای اپار س کہ اسلا ظا اور اسلا تومت کے اون کے محت جس توب کے 
ستو چب قرار پا گے اس شی اولدکی طرف س ےکوی ان وعاقیت یں میس مل ےکی او رشرت میس اس اتپا رس ےکم وہای رک نماز کے | 
ہب قور ال کی عذراب می لگ رقا رر ےک ”زس نکویو وکھانے "کے بارے میس ”یسل پل جاک زا" یہ ست ہ ےکک رسک ناد ْ 
ا تک می زان ہوں سی پیک سلبان کے مقابلہ ردد ین وین مول آو اس صورت شلمقابلہ ے جمٹ چات اور راو رار خا زکرم 
سادا ن کوپ ھار یں ےہاں 7 اک کے امیس دو سے را ہو ںتو یھر ات ککاخطر وک ےکر ماب سے پٹ جانا اور جانا جھانے کے _ 
77 راخب رک لی ہام وک۲ آ خضرت i‏ ماز کو عم الف کے و رد ا کسی بھی صورت یس اہ PAE‏ 
مت وکرا یا خوآہ ہا ز ام ھی شید ہو جائی دورمن کے سابل م تسا یکیوں تہ رہ اوس مرف ٹل ایک اناد کور یک 
ینان ریک سے اور دس کے خلاف حضرت موا کوت کاک نی 1ک ایا ا ےک جب لی ٦إ‏ ری کول وکیل جا 
ع یی تو وام دہشت زوو وکر اکر رچھوڈد نے ںاور بای سے کل ہا گے نہیں ا 
۲ و E‏ ال لہ یں کہ چولوک! یآ وکی یں لے سے ای کن اق نے حر لت 
١ں‏ بار کے دور رتل ادر وہاں ٹہآ یس لن چو لوک بے سی ہ ےآ بای 2 اس بھوں الن کے نے چا یں ہے ود موت کے توف 
سے اک ایارک وچو ڑ وی ورو ں سے کل سکیس اوک وا ئرددآپادئی سے کل پان ایائیگنادہے جیا ون کے مقابلہ سے جاک 
کک و ات رص اغفاد ے ھا کالہ ادرال ے اپ موت سے ں۶ وو کاٹ ٤‏ 


و جا ےکا 
۱ رر ے 1 امان ) ۱ 
iD‏ وع 21200 ِثْمَا اق کان على عد زمؤل للہ صلی ال علیہ وَل فسا یز وان مر نکر 
۲ َالأيْمَان۔زرواہ اقاری) 


دی رت بردو سور ںاید" 
(خارل ) 
نر Ee ah‏ پر فرب اش لیے 
ج ایک ارق کنا بے ب یں رب فی کرو اکر کی ملمان ہار سے یں ارہ ا ےکی تس من یں ہے 
٣‏ ب کی مان ےلو سی کرو ار راد کا اوگ اور اسلائی کاو مت ا یکو سزائے موت نے در ےگی۔ 


عله آپ ١‏ )اراک ڈیڈ جن مان ہے او رک یبدا کی جآ پک نات عقرت تارتین تال مہ شارت کب پا ری دا هم ٦‏ 
۱ وت 


متاپ ر جرد Eid . SS‏ ا ) جلزاول: 


فى لوو 


۱ . وسوسہ کے تی ںول یک سی یس ڈالے؛ سح اہم رو 
۱ پچ اتک ال یچ î‏ ولک طرف سےدل ردام ولچ : 


" ْ ٢ 0 وہوسہ‎ 5 ٠ 
: دا ہلان مور ںاور اہر ںاور اک اتپا ر ے علیام ےا ر 277 ینیل ا 7 1 وم‎ ۱ ۱ ۱ 
تو حضروری من افر ری ے اور رو مریم اختیا ری“ ے۔ ضرو ری اضطرا ارک وسو ےا یکو کت بی کک نامای ايان وشن‎ 
متا یبا تکاخیال انگ اور بے اختیارد ل ودار م کر ہا ےا کو اصظلاتی طوزب “ ای ے تخیر کیا چاتا ےا ای‎ 
کی سا یکر شت امتوں میں کی ری ہے اور اس اھت میں کی ہے اور کروی ب راخیال دل وزماغ یس نھہرجائے او رفا کیقیت پرا‎ 

۱ ہوجا کےکو ا کو ”طز“ ے جریا جا ہے اوریے (غا ط یقت سے ماف ہے ن *اغتیا ریا وسو اک ہی کاو 
انو“ ھن کے منائ یی بات کاضیال رل ودیل یداہ یراچ رر عل خلا ںآرتارے۔ یع تی ومن یں 
ک ےکر ےد اور امب وت لزت و" بھی E‏ ا فو ا رو 2 لا اور صف 
ای امت سے معاف ے؛ ای کول مواغیذہ ٹنیس اور چب کی نی سورت !ختارہکرے اس کو کاو سے ایال میں کی 
اک ار ل ۴ق زت وچا او یھر نے کول سے از رک تو یں کے عو ت یھی ای دتم کے ماب :اناگ . 
۱ وسو کیا وومر صور تکام ر ے* جن نان بعت اور ٹف کا کی ہرے خیال اور رک بات کو ات اثر رر اور یالما اورت ` 
۱ ۱ تصرف بے کال خیالی ‏ لقت وکرام ہیت نویل کاپ ,72 ای کت اراو وگ را لہ اگ رکوگی غار بات ہو اور اساب و ۱ 
ڈراح امون 7 وود شی طو ںی مورت اغا ارک نے وسو ےک بے سور تا کے ڈنل موائیزہ نے کن | ي موان زە لو یت 2 ۱ 

۱ لور ہونے وانے منواخیززہ سے کی موی مططلب ی کہ وسوسہ جب تب 2 ا٣‏ ارک گناہ ہیا اور جب اندر سے کل ری 
ور ت| جیا اکر ےگا وناد زی اد موک ۱ 
ر یال نیہ دضاحت رو رگا ے کیہ وسوس ھگورہ پل تی بن انل رہ 177 ہے جن کے وقوخ اور صدو رکا نخان 
اہر اعا رخسم سے ہے سس اورت راو 4 خی جو ایس دل ودنا کا جب اھ را عقرداو ر صد روو يوووا اکا 
تی ید ل 31 یں ان ییار ری ماتا 


اَلفَصَلُ الأؤل ٠‏ 
وسوسو ںی مواق ٠.‏ 
© غن ان ررقن ف رموں على له علوم ن اغى تاوزن این تاروت ي 
٣‏ ضدۇژهَامال تعمل به اۇنشگلم- ت مي 
ا شرج یڈ کے کر مرل اط پا لادی پک ہے ہا 


و 


ارت ري ff 5 Ea‏ | بازازل ' 


ماف کردا یپ جو ان کے دلو یش اوت ہیں جب کک دوان ومو سوں پیل ت گی اورا تورات پت لاہ جار 7 
۱ ٰ ہے ا ھا ایا نکی طامتے ۱ 
(۶)وَعَلۂ فان ءامن حاب مز اللوصَلی الله عَلَنِه ؤسَلمَلی اتی عَلی الل علوم ذذ 
جد فى اََقْسِنَ مَبتَعََْماَحَذْنً انكلم به فان اوقد رَجَدْتْو قَلْوانعَمقَال ذَلكَضَر رح الَابْمَان۔ررہ ٦‏ 
عو رنقرت الو رر رہ کی ہی ا( کی ون )ر سول ابر نا کے چن کالب رگاور سال تاب Ê‏ یس حاض یہو اور ی کی اکے جم 
4 اپ دلول شی ی اش نی و سوسے ہیا ہیں7 شس کازربان ا بھی یھ اکت ہیں سرکار نے کوچ الیل ول تی ایاپ سے ہو کہ 
٣‏ 1 ۰ ج کول اوس ہار سے اثر ہی اھا توخو ہار ادل ن ںکو پیت کراس اور | کازبا ن پلا بھی برا جا برب سی * سے 
ر آنحضرت ج نے فریا اکا امان ہے“ سس Ra.‏ 
Tot 4‏ 
© عفان ف رمزن لہ صلی لعل زلم ای شید احخدکم لزز م محل ذا 7 
خی قۇن مَن نلق رَبَكَ: فإذابلغ كيد باللَور لله نط ٠‏ 
اور ترت الو ہریڈ کت ہی سک ر سول اش صلی الف علیہ لم ےرا یا می سے یھی زمیوں ےل شیطان 7آ سے اور کت ا 
خلوں فلوں کک نے راک ا وی لا کا وچ کے در اید ۱ ٣‏ 
یپا سک آجائ تو کو یا سیک الل سے اھا کے اذ اک سل کر وے۔' ار 3 ۳ 
نسح : شیطان انساان کے رف مال ا را ء کا سب سے ٹا ان ہے۔ ا ی کانیاو ق فصب اشن ہی یہ سب کہ ال کے بندو یک a‏ 
ذات دحفات پر ایمالن د“ ین کیج در ھائے ادر کے میس لگا رے یی نی کم دہ فری با رئیا کے ذ لچ اتان کے نیک ہو 
٠‏ ےکا مول شس رکاوٹ او ل پیر کتک اکرتارہے کک ای فیرذست قدرت کے ئل رک جوقق توا نے کت یعصلحعت کے 
. ت الکو وک ہے۔ وسوسمہ اندازگی کے زرن انا نکی سو کر اور خیالام کی دنیائیش ملف اندراز کے شمات اور ا بھی سرا 
۱ کر کیک شش کرت چ کان جن ارو ںکی سو کر اورخیالاث کے سرش وں پر یران شی نکی مو کر ہو ہے وہ اسے ائان 
کی کرک اور شحو رک ماقت سے شیطان کے وسوسو ںکوناکارہ نا سیت لو *چنانجہ اک عدریث شس جرال اش شرطاق وسوسو ںا شان ) ۱ 
8 ر یکاک نے وہیں اس یلو ی طرف ؟ بھی اشار ہک کے جو لن وسوسو کوخیر من اور کاروبنانے سے تلق رکا ے۔فراا کیل ےکر 
۱ یل توشطان ال کی محلوقات اور موجودات کے ہار ویش وسوس ائ ر از رخا ےل کر وخال جس ہے بات اتا ےک انانم وچو 
1 نے بای یہ زم وا ا نک تیک کاکار نام ہے وگ اللکیاذات وصفات پر امان کے وااو ںکیات لی انیا تک تام ملروے ر 
موچووا نک کت و کون لو عي تکا بی شور و ادرک رک سے ای بے مفلوقا تکی م کی شیطا نکی وسو ائرازکزراده امیت 
یں کی کین معالمہ وہاں :ارک ہو ماتا سے جب یہ سلا ارک ہوک ات پار ی تال تک کج جا اوخو شطال ول وان 
سے سوا لکمرے جب ہے ن وآسمان او رسای وتات ا دکی سی اکردوہ ںورود انل ہک وکس نے ر اکیا؟ فرا گا جوں بی ہے 
وسو پا ا سے ال سے ناماو اور اپے زین سے ا قاس خی لکوفو ڑا جک وواک وسوس شیطان اسا ع و جائے ا شک ۱ 
و جیا ہے کامطلب کش زان سے ند الفاظاداکر لی امیس سے بل کہ ایک ر نآو اۓے ر وخیا لکوت وکر کے۱ سی شر ډو“ نی 
سوفوس سی بی وی ںکیا دش سے ہے اورکیشہ زہ ےک اور . 


ا کر یع ہر کک ff a.‏ ۱ ۱ ۱ ۱ ۱ ۱ لہ اتی 


سر طرفراضت ماد داد ذات ارگ تال کے وک راخ ق کے ور ین نس کے کے اورک ولگ کے رر قوی 
رف ڑچ رہو۔ دوس کیا رار و کک کا ایک اور ی مور ریچ عایاء کے ہے یکلا ےک 00ے یی نس چا سے لے 
) وئے ال رکا دس پیا ول سے فا ہے اوس دو یہ اکر کم اور ظط نگ جائے اک شرت رعیان 
نز ری مور یٹ جات کا اورو وس گیا راہ ارگ جا ےگیا۔ : 
© ةلقن رین على لاعايەۇم ليزن قاش او ریغت مل ئیر 
علق اللةقمنْوجَدمن ذلك مايقل ملت باللووز سيه انمي 
×7 راوگ کیہ مس کار دوعا سی ای علیہ لم نے ا شا فیک پیش ا ےل شی قلوقات و خی کک بارے مل 
٣‏ خیاللات اکر نے رہیں گے پال ت کک ہکا جا ا( دما یہ دوس ہآ کے اہ اس تام و یکوخدرانے پی کیا ے کوان راکو ۱ 
1ت سس شس کے ول وداس یا عیب سہ ا سس کے 
ویپ امات لیا "فارگ سکم ۱ 
ن :رطان وسوس انوازگ او رگرا ون خیالا تکوش سے مین کے لئے نک رت یی مایا سی ہیں 
اک کے ر سول امان ای ناچا اک کے ور کے ڈراہ زان ی اقرارو اتا کر ےک کش ای ہڈا پر اور اک کے 
تج رول پر ایمائن رتا ہوں سے یں آ٤‏ کیا ےک ا لکیاذات واجب الوجو ہے ددبیشہ سے سے اورپیشہ رکا ا ںکوسی 
نے سرا کیہ ام جہا ں کا ابر ام چڑوں کاو شا ہے دی رل ووا مس !ان آوں کی کت وصراق ت کات را چوک اور 
۰ زو ت رکویرے خیالات ے7 حفط وسلا یما لو کی کے سوب شیطالن ان مقصہ بی کا یاب ںہو ' 
7 انیا کے ا 1 نک شیطان اور بک وش مقر رکیاکیاے 
.@ وق اي مز فان کن رشو ل فلو صلی للع لم بنیز خو وقد كرابن جن 
َفَرَلهمَِالْمَيكَةِقالو وا كَازشزن اللَقَان ابی زَلْكِنٌاللَهَاَعَائينْ َلوفَسْلم فا می الا خير ita‏ 
۱ ”اور تشر | بن مود اوک ہی ںکہ سار ددعال سی ال علیہ وام نے ارشاوفایاقم یش ےکوی ننس ایا یس سے جن کے سات ایک 
) مزا رجتوں (شیطان شی سے اور ایک زار فرشتوں شیں سے مقر کیا کیا ہو: ھا نے غر کیا انز سول ای کیا آ پا کے ساجھ 
یآ ا نے را بیان میرہے تھ کی کیان شیا ےک کو اس (جمن موک )سے مق ہکر نے شل دددمے ری سے ا لے می 
۱ کے کفرب اور ا یک تی )ہے فور تاہوں :بل پیا مت فک )وہ * ھی بے لاک یکامشوردوجے۔ تاق کی 
ت5 E‏ کرت تد اسم سز سی Si‏ ۲ 
۱ سر یزیر را ای رر چو ےووہ مود وہ دو وی 
سیگ ددم ایک بن (شیطان )موتا ے: 32 کا ی دنا کہ وہ انسا نکوبرائی کے راستہ پر ڈالتارہے۔چنانچ ددگناوو صت ال 
ہت ی ر سے الات وغل وسوے دا ارا ےا ا کا نام" سوای ے۔ 


شیطان انا نکی رگوں میں دو ڑا سے 
وغ س از فان سول الل صلی للعَلی سم اظن خی من الانمان مخرى الام نمي 
”اور شرت ال کت لت و سکہ رسول اش چنب نے مہا انساع کے ان رشان ای طرح وڈ کچھ راہ ی ۷و 8ر 


ار ر یر ور ۱ ٦‏ ۱ ۳ ۱ ۱ ۱ لاو 
۱ رہاے۔ ار 1و i‏ ) 
شر لے ےک طا شان LATE‏ قررت رتا ے_ مر فی ایل پک و8 لف ظاہری صورتوں a‏ وای 


او رضیف بش رو لو یو لا کے راس 4 نے شی رکاوٹ پید راک اہ بک ہانسا نک ادا 7 اح سک ر١‏ تن کے نگ ورای 
کاب ددا اکور گند وکرن ےک کش کر ےد 


ارت کے رتت بے کارداشیا لک ل۷ نی ہے 


2 وَعن ین مُریْرۃفَان قال سۇ الله صلی الله عَلَهَِسَلَمْمَامِنْ تی دم ولذ شۂ شیا جین ود 
۰" نهل ار امش السيظان غير ريم انبا نن لی 
”اور حضرت الو چرم و گے ہی پک رخول ال پت ےے ف ا ما یآ دم کے مہا جو بی ہ را ارا سے شیطان! کو سے ییوج 
۱ کرو اتا ےلکن ابع مرگ( جرت یا علیہ ا0ا و را نکی ما کو شیطاع نے" و ا ا ٠‏ ۱ ۱ 
تر : شطان کے مچھون ےکا مطلب ےسک ددولاوت کے وقت پچ ہک کوک س ری یں اس مر مارتا کہ ب ہیف مسویں 
۱ کرت ہے اور چلا اکر روئ ےگ ے۔ ال شیطال ا کا مرچ وت ۔ مرف حضرت می اور لن کے ہہ رت سی علیہ - 
الام وس شبیطا یکل سے فو رہے تھے ان دولو ںکا خوط نامر اس دعا عقولی تکا E‏ ادن ےک 1 
. اور ںوت رآ ن نے کو ں شل کیاے۔ 
,0 سام 
”سے خحدائیش ا مرک ا لک اول وکوشیطان مردود ےآ پک پاش رک ہوں۔ * 
رت شل مر اور شی علیہ السلا م کا کر خا ور پر ای ےک یاگیا کہ ا نکیا والدہ سے مرا وھا تقول ے اس لے ۱ 
حضور پچ نے بھی راتا اس کے قبا لاتا یدازا لازم نی سآ ود رےانیاءکشیان ے رتت ولارت 
۱ پھواہو اور اناو نیف بنا ی ہو۔ ) 
ہاں ے اشال و بھی کیااک اکر شیا ن او ا ا ولاب بمروے۔ وگ طا u‏ تو تر 
ویک سے ودای سے زیادد اور بھی کرس رنہ ای کے یرٹسہ ےکہ وھک یکو اک سے زی ملیف پک پا کفکروے 
0 وو سے شبطان کے ماب بیس لا لہ بھی نوہوے یں کہا کر ے ہیں۱ لے کی 01 کک ارت جار رو 
٤‏ سے او زر ھا اور اۓ ےک ملک اراروشںکا ماب ہوجائے۔ 
لغ وَعَتدقَالِ فان دز للِصَلی للبو ملم ماح الم دجن بقع نز 7و0 
”اور حضرت ا لے راوگ ین ناک سرا روع کیا علیہ کےا رش رڈاا اد ت کے وقت بای لے لا کہ شیطان ا لک 
کے کا ہے۔ "زار5 یں 


مال بوک کے درم شان 1 بتري >5 


ناس ا 0077 ETE‏ لن اٹ E‏ 
اخم يفول مارک خی رفت بيه رین رة فان قوذي بنة ونفؤل نعم اك قلاخ آزؤقن ۱ 


سور 


عفار رو 0ر د کن لر اڑل 
ْ فیلت رمف م a. .‌ ۲ ) ٠‏ 
۱ وو رحضرت پاب کے ہی ںکمہ ر مول اللہ پچ نے فربایا ایس اپاخ کر مت ف شی ندر رتا ے چ ردہاں سے ابق چو ں کو ۔ 
روا ہکرت ے اک لوگو ںکو فت اور کروی یس ماک ری ا افو چوک کاک سکاسب سے اقرب وہ سے جو سب سے زافق اراز 
ہو۔ ان شل سے ایک وا اک رکچ ےہ میس نے فلا فلاں لت پر کے ہیں ایی اس کے جواب شی بت ہے :کو نے چ تی کیا 
ضرت پل بات ہی ںکہ ران مس سے ایک اہ او رکا اش نے( ایک بتر کر اشرو کیا درا ا وقت تک ای 
ٹف سکیا یں مورا جب کک انس کے اور ا یدگ کے درمیان چراگی نہ ڈلوادگی ۔آنحضرت راسے بی پک اشیس(یہ ک نکم) کی 
کو اپنے قرب ایتا سے او رتا جک ہآونے اچچھا ام کہا( ص یت کے ایک در کے ہیں سیراخیال ہی جار نے کہا کے (فیدب - 
090-000207 302س رر ا بت تحت 
7 2 :را ایا سے مراد 7 بھڑے کے زرب مر دک زبان ے ای یس ا ے الغا اداکروینا ے سے کی اوک 
طلا ن جب جائے۔ طلا پان میس عورت آئے فاونر قرام ہو جا چ اس سے شیطا کا تھے ہوا کہ مرد ای جالح کے ۰ 
با س ورم کو وت کا شس رای کے ہو سے اس سے محب تک رکا ر جوورا کی حرا کارکی چول سے اور وس رح کے لواو ںی 
ا کرک کے مم ٹس نا ار اداد یراہ وٹ رہے+ ”یں سے رو کے رشن ب نا اکر الاک تھ ر ار ری اور دہ ناکد ہے وا ے 
او وشاٹل اراو یت ز یاد ہے ڑیادہ پیل ےد ںا ْ a‏ 


بے ۃ ارب م ںآوحی رک مہو بار ہے شیبلان اوک شیا 
9 وَعَناقال فان ززن الله صلی الله عَلَي رَسَلَم اسان قد يس مِن ايد لصن فی جزيرةالعَرب 
اور رت چا کت ای لے ر ول الد چپ نے نے راشان کی بات سے الول 6 وکیا ےکم ره رپ ن لین ی 
کک کن ن کے ر ریا فت وفارپھلاے اوی نواس | 
2ط مطلب نیک بر ةرب ما ران اس مکی چوس اتی مض ونکیں ہی ںاو رتزحی کا اگ یہاں کے لولوں ےول ودای 
71 لر مکیاے کہ اب اک خط ار یل بت 4 کی ایی یری ں ےکا ا مس ارہ ٹیس شیطان نے ی ری کے 
7 صلی کر ہے ادروداس بات سے قظقابا ول وکیا ےک پال کے من ومسلران ای کے بکاوے من کرت پک اور دد سی 
۱ موی مرکا نج کتوں ین ا ہوک ی لیکن بب صورت ہکات ا ورور قاتاج وکر شیطائ نکی ارت جج یگ آل رة عیب کے 
لوگوں شاا ت 7 سکیا ہے اورا بات شل پر امیر ےکا کے د ریا ن رج بات اجا رک انیس شی لای سا ٴ 
ے۔ الاو اتان دا نشار کے فتوں مل کاچ ساچ ۰ 
صدیث کے لیس تریس ے بار ت لوٹ مرن ےک ےکہ زات رسمالت سے ےک رج کم یبھی جزرۃ الع رب می مت کی 
یس ہوئی کل ہوئے مش رکا اعا لک کی منظا رو ٹنیس ہوا۔ ہے دو ری بات ےکر شیطا ن کو رعقید ہلولو یکو االو اسلا ے 
مخ کے می کامیاب :گیب لک مر ہوگئے ہو ں کیک ان ٹس ہے بھ کوک بت ست م وکیا ہو اما رن ہوا۔ 


منظاہ ری جد - - ۴۶ __ 23 - . لر اولي 
' الان 


ا ۱ 

© عن اټ عاس أن ایی صلی الل عليه ولم جَاءه رَجْلَقانائیاَحَدَث تقب والب لان فزن مذ 

ىلع بن كلم يوقا الحم يلهال اهر إلى لوس ابہ رش 

خضرت این عبان رایت گمرتے ہی ںکہ نیک رخ مکی اللہ علیہ و مکی خر ست جس ایک یل کت ون ۱ 

ا الد ہا( را کیال پا ہو ںکمہ زان سے ام کے اظہار کے ہججائے ٠‏ لک رکوہ ہو جنپ ھکیو پند ہے ۔آنحضرت a‏ س 

گن e‏ ای کشر اراکرو یس ےا ی خا کو وسو سے یھر تک ریا “راردا 4 
تن :خان نے ان کال کے ند روگ رغال ڈال دا نس سے ان کے انی صل اعت 00 
با ہوئےآنحضرت کا رمت ںآ ئے آنحضرت پا نے ان کہ یا کہ اس سے پیٹان ہونےےک رورت یس ےا 
ت وک اش سے کہ ارا ایا اسیو شوگ ری ر بیدا رست اور ا کے کال وکو ونار ےول ووا ج ےول ۱ 
گا ورود وہوسے* ور اگ وا نس ںا کی ری کے دسومہ تہ کون موائیڈدے اور کی مقصا نکر ش ۰ا 9 Ff‏ 
۱ رال س اف تر رو اہ ہاںا کرد راخیل دس ک ھدآ ھک تہ انال ہے امود او ا حطر 


ےا 27 ریگ یا رکا ار اداکرو اور شیا نکی وسوسہاندازگی کے وقت اللہ یا اہ 7 
© زضی ان مۇد قل فان زل اللہ صلی العم ملظو ا ا ںہ 

٠‏ الشٌیظان قاقد 7 7 کیٹ باحق وَاَمَالمَة املك فإيعَاذٌبالْخَیر وَنَصدِبْقٌ بالق فمن وَجْد ذٰلِكفَلَْعلمْانَه 

ب اللو خمد ائ ۇن رجذ لغری قاذ بدارین شیک ازس قرأ ناکم شار ار 
بالْفْخْشاءزالبقرۃ وَاازْمِذِیٔو قَالَْهٰذاحَِِيْتٌ بٹغربب- . 
”اور نضرت امن "ور راوگ 21 کے رووا 4 سلا علیہ رم نے ور شا فیا تت ے جک و راان r‏ امرقی 7 
ہو اک راہ اور ایک تصرف ٹرش ہکاشرطا نکانصر ف آوے ے 04 کو ولا ے اور فرش رک صرف ہز ےک وہ 
نیم ار ے اورک تمر کرت سے ہرز چون کیب فرش کے ابھارن ےکا کفیت ذف ہا ستو اک او ےلے _ 
7 لا یک انب ے ( ایکا اک ی الکو کاشکر الہ چا ے اور ج شس دوس کیفیت ن شیا نومر انرازگ ا بے 
ارپا تو ا کو چا ہی کہ شیطاان روود سے اشک ناو طلبکمرے کراپ نا نے می کی ایت ی( کات ہمہ ہے) شیطائن 
۱ نہیں نر ڈراتا چاو رگا کے لے ااا ے۔ا می ر وای کور ےی ے کے او کان ا بے" 

. نتر فرع کے ا چھارنے کا مطلب آوے ےک وہ یگ یک اتاو ری رتوا سے اجروا زا مکی 0 2 : 
١‏ 2021 کور م ے مات اا ے لہ ال کیا رن ی انسانی تک بقار کا اکن سے الل کے ر مول جخ راھ ےک رآ نے رر یشن ْ 
او کروی اورا روک چات لوشیرہے۔ا ال ا ظا ذخیات چا موتو را کے را سے : و اور۔ گی کےا کو ایا نی 

ال کا اہما راہ ہو تا ج 9000 1 رات 7 ر سے و سے | نداگی کے رجو ارت اک خیادیا الوں شا آوحید؛ مورت 


ظاہرل پرر ) ي ۴۸۸ ۱ ا ے8 0 ۱ تر 


۱ آرت اوروو سے نیم سي مرددو یلمد ارح 2 وہ ما سورت مل اوریدگی 7 ۶ شل مور ت ل یں یکرم کے 

نسالی و ما ی مہ مات مھا ےکی یک رجا ےک َ2 جو ںکو افا کرو کے جوک سے تجی ی ما ہی قور یٹائیاں اا گے یں ٴ 
رواش نکر وگ کل وقاع تکین دک اغترکر وک او اسے اوقا تکودیا ماق ٹیس عر ف کے کی جائے الک عبارت اور | 
زو اي ودی وات کے ے ای امو 
Ea‏ 


و سو سے ہراہوں وشطان کو رووا اور لہ نر ای اکا اه اہو : 

© وع ناین زززل الو صلی علج وسن 5یرل قاش ہمت ان حئی بقن هلق ول 
لْعَلق فم حَلق الله فا فالز ذلك ففُزلز الخد الل الصْمَد لويد ولم يو لیکن لكف حڈٹویشن ` 
عن شار ن وليشت الله م ايان الڑجنم روا آبؤڌاؤ ومذ ر حَيِزبَ ت غمرو ن الأخوص فی باب 
) عللبة زم ار إنْ اء الله تعالى۔ 

)ور نضرت ال ر ہرم و رسول اللہ بل ےرت ار ون آپ -٦‏ نے الگ وک تو کرات ویر ے پیر ے مین ۱ 
ویاو ابچ کر گے۔ او پچ رارش پہ سوال 7)۶ لوا کول نے مد کے توشود ا ییا اخ 
سوا لک اکا چا ےو و ہو الد یک ہے :الد سی ا ہے دا کیا رجا سے اور ہککیانے الکو جناہےساد رکو اکا وی 
ورا کے( یراق پال طرف ؟ می مار کار رو اور شیبان 0'900 اور اسي سوچ لے ہیس کہ Er‏ 
گرو این جو٣‏ کی روایت ںکوصاجب مرا نے یہاں ف٦‏ کیا تھا وت ارا شی ےتا 
ینہ ورایت اکا اب کے مشر ےکم لق یق یں" 


لضا الاي 


ْ ۱ شیطال موسو سے نامو ۱ 

12 خن ات قال فان زمزن اللوصلًىاللعليە نيرع اف ش ياء ازن فى راھدا شیع 
ىقن لق اعروج روائالخارىۇ لمشيو قان الله غ وجل اتىك 5ي رو رز دا اکنا 
۶ب ود شس . 
”ضرت 2 کت فی کہ در حول الہ نے ہے رای ارک آم یس لجا لوہ بیکرت ری گے ان شال ت2 0 

) 7ب کے الات پیا نے ر یں گے )کہ جب پرچچزکو خدا کے یی اکیا(توغیدائے بز رب نت بد اگیا؟ ) 
جار e‏ گیاردایت ںول ہے! ا کاک ر سول الد ہپ نے راا اش یا رن نا ےک ہآ کشت کار . 
1 کر شیطاان کے وسوس ا اترا زی ے توکناتر ہے لو گے ائیں ایی ک ےک کیا ے؟ اور کے ہوا؟( ی وات کے ارہے مل نو 
جس اکر ب( اور پر تریس ایی کے ر اول اگ ال نے داگیا ت ورا ےرت ور رکوس نے سد اکیاے؟۔'' 


مارک دوران شیطانکی یل رزی 
0 ورای فرفر لت ېرمن رنهد س6 ضلین 7 قرائ 


"م 


ُلَسْهَاعَلَق قال رَسُزل لو صَلی الله لو 07 رن اب ذا آخششته فر EY‏ انف 
عَلىبَتار كَنَان لعل ےُ ذْلِكفَاْعَمڈاللاُغتین- رد ہ٣‏ . 

. "وو رحضرت قان ین الم العا کچ ہی سک می نے کیا یس میس ےت 
٠‏ حا ہو جا تا ج اور ان چڑوں ل شب ب امار چا ے۔ ر سول اش انا ا زی دو شوطالع ے کک لو ر ب کہا جانا ےد چ ں ج 
ہیں اس کااحاس ہوک شیطان وسوا ی و کیرات یں لا اکر ے آرم ای (شیطان روود سے غد اکتا کو اور امیس طر ف تم رقع 
٣‏ تکار دو۔ حضرت عفان 0+ کے اس ار شا کے مار یس نے اک رکا تقوخدا تما نے کے ال کے 

وسوا تی و رات ے فا ریا "7ح 


و ادروسو کور نر 0107 رکو 


ل6 و وَعَنِ ايبن محْمَدِأَنَرَجُلا سَألَهفق نال امم ین صَلان فَيَكبْژ ذلك على فان له اٴض فی صَلاتِلكُ 
انه ر بذ ذْلِكَ خَلْكَحَتی صرف زَالتَتَقْزلْمَااَنْتَذتُ ص لات داماد ۱ ۱ 
و و ی سے اب ٹوس نے مرخ سکیا 71 مھا ماد )ہار ساےہ سی اف یز ورک 
ارا نیس ہوگی کی ےو پھم ر جات ےکا الت رکعت شغ ےرہ ر س سی وچ ے رگرالی وی ے؟۱ نہوں نے شرا ی رب 
کے کال م پروعیانن وو را دک ای کہ دہ شیا کم ے جب کردا الم یزپ ی کرااو رکہوکہ شش 
نے ابی اہر 1< زوک "1 ۱ 
شرع :غاز ی وہ سب ےا ارت ےج جال کے نیک رد ںکو ہکان ورو رطا ے کک لے شیطا ن کاو سپ 
سے اوہ حرف ہے ہہ یطا نک رب کار مول کے جوا م لولوں نما کے رورا اورک ڈ ت ر س اور 
72 نی و تا ےکہ ا رتیت بائد ع ی رل ودای وا پھ کے خیالا ت گا جتاغ ہش شرو و اتا سے ە وہ ایل پت a‏ 
نل نمازشی کے رورا ز نم کیل ے لک ہیں خیطان رح ر کے وسوے اور خماوات سد سد اکرنارہتاے. الو چوک ریاے 
کہ ما لیس ہوئی چکگ ایک رکحت اد رکعت چھو ٹچ" و ردروا ےک نمرج نی ہو ے۔فلال رن ترک 
موکیاتے۔قرأت شل فلا ںات مو ٹک اکا وسو انرازگ حے طا نک ھی رے رتا ے کے از کیا نما زکاخاسلہ eg‏ 
رے اور یت آوڑرے۔ شیا نک ای تیب کا سے مفوظار ےکا طریقہ یہ گیا کہ جب شیا نے ا رح کے واہے 
اور وک از اہول تو اق نازا ساسا رر EE‏ نوہ ناز ری کرو اورشیطان سے کوک ال میں میک رریاہوں؛ ایر 
) درست بیس ہو ری ےلین میس نما ڑ ہو گا اور تمر ےکین کل ایی کروںگا۔ اکھج چ ںکہ یہ عطریقہ شیطانی اشرات سے فون 
ٌ ری کے گے ہت تی کرک ر ےا ےک اس رع شیطان زک ہے ار ہو جات ہے اور جب دیہان لیما کہ ی میرے نے 
ل سان بن ال اما کی یت و راط ے قویلہ یف ے مو رکھت ہیں نی ےی ہے ہیں آپ ابے قویلہ یف کے وفد کے راہ ددبار زسالت 
یں حاض ہو کے اور آحضرت ی اللہ علیہ رات اسلام و لک کے دا ت سے مرف ہوئے۔ ای کے بح دآنحضرت نے ا نک اپے یا 
ایر مقر رکر دی تھا وفات بو سے بعر جب اال طائف ؟رجرا رک طرف ای ہونے گے تو نان لی اواس جک ذت گیا نمس نے لن کہ اداد ے پاژرگھا. 
آپ نے بصرہ ںاھ ھ می رفات پل ۔ ۱ ۱ 
آپ کرت الیک صقر اللہ تال عنہ کے ہت از ھب الک ا ا 


اب و یل لق اشن آپ اش تاچ کی بن سوہ ST‏ اا ایر سال شر 
آپک تال ہوا۔ ۱ 


ارک جرد گ۔ E E‏ . ار او 


مآ کے واش ےو اس کیال سے ف ہاتاے۔ ‏ 
O OO TT REA r‏ 
او قرات کو یکا ی بای وو تع ای موراکیاے اور اروا یا کی شاک کو کرای وا ورت سپچ ا را کی دای شی و 
ری ہے اورا کا ا ساس ورپ توا ی وکوا یکودو رکرنا او خمازکی حت ود کی طرف ڑج ہوناشروری ے_ ۱ 
لا عم زکہ شیا یل تراک سے مرف نظ رک کے نی از رکا نیاوی تمر اس طرف مج جہکرنا ےک شطان 
سے جوکنارہو. ا یکو اشر اترا ہو ےکا مومع نہ دد ا ےول ودوا کو تیاب ار کے میا ات مان زوا ا | 
اق کور عفر کے اھک شیا ارہ نے کا رای ا 
بیس کہ رور ست تہ لکوورست کرو او جل گار وگناک 


اب ل‌يْمَانِبلْفدر 


قزر ب امان لات ےکابیان: 


وووسٗمساسو. 27 رد DE ea‏ 7 
دہ ا کے پرا ہو ئے سے کسلے خی لور فو ظا یلک ری گئ ہیں: ند سے کل کک اڑوچ زا سے وہ را کے مم و اندازہ کے مطاان ٰ 
پوباے لیکن شا نے اا نکیل وو ان کی روت ے ٹوا کر آن ا کی اریدکیادوفوں رات وکر دی میں اوران ع ذ 
کا اختاردے دیا اور جار کے ال گی کے (راس کو ا ختیارکر وگ ےتوخیدا تھا کی خو شتوو ی کاہا ع م وکا پر جڑاء و انام ےلواڑے ٠‏ 
جا کے اور اکر ری کے رام کو اختیا رکرروگ ےتوہ دا کے خحضب اور وی کی نارای کاٹ ہ گا اک وچ ہے ۱اد عراب کے ٰ 
ا 
اب ان ووز ساف رات کے بعد جرک کی وار 7700 نےتوژ: ار انل وکرم مر اک رست ے رازا 
ا اورا غا 0 ا رارت ےرا کر ا یی کے اور راک رکوئی 8 انرجا سے ےکسپو اتا سے 
ر 7 کے راست کر اغا رر ےآوردا ا 6 وچب رر اورا سے یڑا ب وای ےغار ووڑ ر یش پیک دیاجائے 8 
زان ت زان شک یی جا ہے از کے و کرک را تتا ارس ےک نک ے ٹیا کا ایا ایک راڑے کل ا 
ات کتاراے نو مقر برض را راس در دا ھی کر ہو وام ےی لے مہم ) 
زیادہ ځور وگ کر اور اس مرن ‌م شل کےکھوڑے دوٹراناچائ نہیں ے جم خی وج کے تام راسنتوں سے مہ کر صرف یہ 
اناو ای خلاح وسعاو تکاضالن ‏ ےک خا سے یہ غو پیر اکر کے ا نکو گر یہو مںپ رک دی ہے٠‏ ای کرو وہ ہے جو اچ ۳ 
اکال او نی ککاممکر ےکا بنا غر 08901 ۱ 10 لعموں اخ گاج ضا کی ال وکرم مرگ اوردد مر روو وہ سے چوہرے ْ 
/ کال کر ےک ج سے دوز یں الا کے کاو یاعد ہوا ۱ 
قول ےکم ایک ٹس نے حضرت لی ee‏ رن رت انے فیا ”یہ ایک براراستہ 
ےا رت چلو کے چ ری سوا لکیا ”اہول نے را پا ا اکر ادردیاے :اس مین اترو وول ما اور ای نپ 
ول۲ رس حطر تی کے فماما: خی ا کا نگ راڑے و رر سے کش دو ااسی لے ا لک نیش وین ست و ١ت‏ 
) و وگ ارت اش کہ وی سارک پر و کر ہہ کے 


ME‏ 0 ا لال 
ے ےھاچ ال پیل چیا ہوجائے و رن ای نل کے تیر اناو رعقیق تم را کاراست ای رک اور اهبا کر 


الفضل الال ْ ۱ ۱ 

([) غن عبدالله بن غفرو قان قان رزسول للوصلی الله يدوسم كب َب الله مدير الخلايق قبل ا 

لزت وَالازض فس الف سنةقانز کان غر شه على السام راوخ تک 
”اور ترت را ہي رو راو مج کہ مرکاررو ا پت SP OP‏ 

رس لے لوقا تک نز رو نک راما ے اور ”فی وقت ) اید نا یکا ریپ ای بر تنا۔ 2 
نر وص سس ساسا کا اک مدان خود اٹ پاتھ 
) سے قزر کے وی یں :بک :ا کا مطل ب کی سک خدانے تام کلوقات وسوا اکرنے سے پیل یا نک تق تل مکوجاری ہونے ۷ 

گوس ےکر ای کے ز رھ لو کفوظ میں شر کروی ںا ےک فرشتو ںاو وس ےکر ان سے لر س ککھوا یں ۔ 
٣‏ اک ہوا جاور کس تد کے لے ای سپچ لکت ت مرو چک کوک پیا سے بہت یہ ان اب 
ْ کاظ رلو فور نی کے ری ی er‏ ) 
ھول سک دان اسان اور تام قوق گے یی ہے نے سے ام ایی پل خا اپاپ پل کا ا خ٭فزارہوا تھااور 

) 20 ۸ 7و۳ راگ کہ ا عا ازل سے ےکر اب کک ہونے وا ےتا اتات و اکال اک وقت خر 
ےلم می تے۔ ج بک از وآ سان کپوا یش ہو ےت اور اکاڑل پالی تھا ی کے رمیا کول در مکل ہیں 


0 اي ملف 99۳ 0 رھ 

ا سے 2 رداوگ یک راد عم پل ےار شار نرا چ ررر سے لے بیہاں ت کک دائال او رناراث یی“ 
۲ ۱ ٌ 

2 رخۆ نی شرۇةقن ۇرۇن على لاخو اذم ۇغۇشى عند هقاذم غۋنى 

سی انت أذ الى خَلَقَكَ الله دم وف فبك ِنْ رجه وَآَسْجُدَلِكَ اكه وَأَسْكَنك فن جَنَعه تم 

اقاس بخولبك الى الأزض فال ادم انت موہ الین اتلاك اله برسالأيه زيكلامه وأخطاك الو ح فيه 
تيا نکل شىء و وَفَژبِكَ نجيًافيكم جذ ت الله کُب الؤزاةقبْل أناأخلق قال موس بارت مين عامًاقاز أدَمْفهل . 
رخات اوعضي اتا را ری فز ناخ على ان خلت عملت لعن ن اغمذة قبل ان 

۱ ي_خَلقبیٰ با غين سَتَدُقَ سَتَذفَان زَسُؤل اللِضلی اللهُعَلیْہ وَسَلمَفحہ حادم مُمُوسی۔ روا " 

ْ اور صخرت اور ر راوگ ہی ںکیہ سرکار دو جال صلی اللہ علیہ کم نے ارشا رای ھالم اروا )آرم و موک لہا الام نے انے 
پور گار کے سیا نے نات کیا اور ضر ت آرم علیہ الام نخرت موی عل السام مال بآ سک مرن مو کی علیہ الام کہا آ اپوت 

آدم ہیں ج نکوخدا سے ا سے تھ سے مایا تھا آپ شاق رو وگ گی فرختوں ےآ کو سر راشا اود ابی جت می آپکو ھا ٴ 

الور بچ راپ ےا فطاء سے لوک کون ر اتر وریا ۳ رآپ خا کرس ےتویاں ھن پ نہ اتارے مجائے اور پکااولاء ) 
اس می سس یہ ورص تو بت زی کیا 


ہر ہر ہے .۔ ۵۳ ارول 

رج کال کے شرف ے مشرف ڈبا پا مو ںیقی یہی بایان تا تر 

یی وکام جا ہو خدانے میرک بی داش س ے کت عرمہ پی تو رد کوک وی تا؟ موک علیہ اطلام کہا چا سال پیل ا ٣‏ 

آزم علیہ السلام نے ھا کیم نے قورات مس ےک ہوئے الا یا وَغھی ادر فو ی(“ یاآوم ہے اچ رپ گی 

ا شک بل کا اد کرام ہوک عوسی لالس ےکا إا وم ہس سے عل ال لا نت کہا پھر 

کور ایی ماب کیو امت ت کرت موي 2۵-200/ س سے جا پا یں سال لے میرے کے وج اء فرت ت 

ےار شارا اویل سے )و علیہ اطلام موک علی الام فا بے سیل 
22 : تر تفآ وم علیہ السلا سے ضرت مو کی عل الم کے سا سے ہو دی میں کیا یکا بر یں ے کیہ سو نک می ی 
پراش سے بھی پاس سال پل ہلل دیاتا جس شیطان ک ےکر ھکر کوج سے برک چاو گا اد رخداکے گی نا فیا لیک کے جج 
منو او تما لک رلو ادزا 1 مس شی میر ےکپ و اختما روون ر ضل یں بت پلک یکر ای مر سے ران 2 گیا لے انس 
کا سے صاور ہو )لادم ورو ری نیازا شن موز ارا 1 را 
.1 لور رات ہی ںکہ ا ںکامطلب ہہ س کہ چوک ال تیان نے ا گرا یک یری پرا ے ھی بی میرے لے لو 
فوت یس مقر ر وی یا کا سطلب ے یا الہ ووضردربروقت وکر موی “ابزاج بوتت مق رای تو کے اھا کے اص مقر 
اد اتاق ےک قاف ل کی مر چت یں میں یں مہ 
اتا رو ادرا کن ست شی رر سے صرف نے 

حر ت آرم و یی نہر ا را ام اش سواہ اسب نظ رت کد سے بے ور 
یس !ئن رولو ں کی ر وخول کے در میا ہواتھا۔ اک لے یا یہ بات بطو رخا جن نا کی نک ی جا ےکہ اک رکوٹی عا ی کنا گار ا امم 
1 لک وپ وو ای کے ےکور مگ یگ حشرت ری لم ا ان ہا اجار وا ساب 
کا یں ے اور پرا نکی ہہ خطاء با رگا الوہیت سے صحاف یکر وی ای گی ازا مہا ں قوسب و اختیار اور ا وا ب گنای رواخ 

کا جا ےک حقرت موی علیہ السام جوا ں؛ تر یں و زمر ری یں اور ان کی تراد ایوہ کہ ستراونوں ے 
ور ی یاک )ہن کر شا نکی قوم کے لئ خداکی جا ے ایام دما کے ہہوئے تھے ء ان تو یں جومضرامن ن ےکور سے دہ 
ت یں لزا لیس سا ل کی ر ان مضاشین کے ہاو یس ہگ بک بے ا ا ے اہ وہ مفاشن چون یں کے کے تمن 
۱ ک ےکن لایر تآ لی السلام کی یئ سے پا سال نل ہے۔ ٣‏ 
© وَعن ان مَشفژو قال حَذئا زرل الله لى الله عليه وَسَلَمَ وهو ادق لزق علق اخ 
ُحْمغ ف بغ ُه اتی توما فة نکی عَلَقَة م ذلك ا يكُؤن مُضِعَة ر ذيك تُتعَتُ بْعَتُ الله اليه مدا 
باتع لمات فيك عله اَلَو ر هوهقو مهية ۇيل لےہ لۇۇ والن لا لہ بز نامغل 
بقل آهل الْجَنَةِ مى مَا يون بيه ها1 ورا فيسب أب اكاب يعمل عمل اهل النارفيذ لها وان 
میا او ہے سز رر سس رر وش ) 
یذ لھ نمی 

اور فرت اا وو TT‏ شی نے ہے رای یتم م سے شف سکینقیق انی کر مرت : 

2 ےہ )ل( وک اق مار کے پر پٹ میس جا یس ون رتا کچ ا ےی رول ۔ ن چا وان کے بعد وہ جماہداخو ا ۔ ر 
۱ اتی ولوں کے بعد وہل 2 + 325 سے ردان ال میاکے پا ایک رش تر چاو الول 2 سے سے سے چا کہ ورش ۱ 


نابرق درد “شس 00207 جلد اول 


ای ےل ا سکاصوت (کاوقت) ا کے رز (کامقدار) اور ا کاپ کت ونیک بت ہو ناد اک عم سے ایک قز کک را 
مم سے اس زان کیا جس کے راکو یبور یں ہ ےکم میں سے ای وی جنتوں کے ےگس لک رتا ر ہا ے۔-یہاں ج کہ ای کے اور 
جت کے رر مان صرف ایک اھ کافاعصلہ رہ جا ما ےکے نز ےکانکھاہہوا آ گے آناے۔ اور وھ زو ڑکیوں کے سے کا مرن ےتاج اور 
روغ میس وال ہو جاجا ہے او تم ٹس ایک آ وی دو یوں کے سے ائما ل ارما بیہاں ت یک اک کے اور ووز کے رر یات )کے 
رکااصلہ رہ اا سپ ہک تخر ےکا لاعیاسا ےآ ٣ے‏ اوروم جنتنوں کے ےکا ر نے لتا اور جت میس داشل ہو جااے_* 4 
کک کک RD‏ 
ر :یم اک لرک بلائی کے راکو چھوکریرائی کاراست ١خت‏ رکرتے ہو ں کن خر کک رھت کال کے صر کدی 
تی ہوتا کہ جولو کہ کت وہر ائی کے ران کو اتا ر کے ہوئے ہو تے ہیں دہ ھلا کی ر ف ؟ جات ہیں اور کی کے راس ہکو ؛ختیارکر 
لج ہیں۔ - | ۱ ۱ ۱ 
اک عریث نے | کی طز اشما کر سے دک ابدگی یات وع اس بکادارویر ار ا PE‏ رسکی ورک رتاو حصت ارد 
ت .- گی ار گا کن 01 PE‏ روت یس سرت رل سے ایا بدا عما نہیں او رگراتی رار 5 وشرمیارہو ر 2۶ بی وسعوارت کے را سر 
بی رع 1ک رکوئ یفص تام رمل و جملا کرجا رہ اور ا کی تام زت رادا اور خداکے رسو ل کی اطانحعت وشیاشیرداریی می گزری- 
۱ لیکن تروقتشلروشرطان ۲٢‏ اکم ای یا اۓ کش رارت گرا وکیا اذز لے ای جات کے ؟ رل ہوں ارا وہر نی ٠‏ 
شف جراد رووا 31 زر یمر کیو ےم وجو رر اس ترا وندییٹش ط1 اکیاجائے 2 2 ۱ ۱ 
از ای صر یٹ سے اہر ہوا لہ لاٹ و ری اور ارول چات ای لی کہ بنلدہ ایی اطاععت لی اورفریان وی نکی 
۱ با ورگا یس روئ رے؛ 94 اتر رئ و “موو شای ہے تناد زگرئے نہ جائے اور رآ نے وا لے 2 4 و اکر غاد ۱ 
مکی زنر یکا ہآش را لبون ی و علائی مم صر فکرتا ر ے تاک ات ہاش کی سارت ہے لوا زا ے۔ 
ای ی اق بات او رذ ان ین ر ی جا ےک جوز تضاو 3 رکے سلو ںکو دک ےکر نظری چ کے مہی ںکہ جب تات 
عراسي“ ن ویر اورت 997707 پر ےکو وک لک کیا ضرورت ے؟ وہ ت کرای سم یں چا کہ ہش یا ) 
٣‏ کرام رضران اش یں نے بھی جر ای لے کی تقیق کو یں بھی ا کے ے سریارد عام کا ES‏ 
آئحضرت نے فرا یک ٹفل کے جالکی وک یس کے مقر رٹ ج ویک ھککیداے ١س‏ پر الکو اختیا رگ ویایڑے_-_ 
بی نا وکر رر بترو سے کر کے تھہمارائل لوو پک نا کی سے اکا رک کو یکا رآ نیس ہوا ۱ کس نے :0 اح ار کی اب 
سے واارد ہو ئے یں اود ال کے سای کو سو جن پک ےکی ابیت او ری وہر کیش اتیک رن ےکی صلاحیت کی ری ی ے :ضز تقہارے' 
تدصرو چپ رک اوہ کی پ ی ایلیا ے کاک ان :ساب کے زرلک رکو لزا اب 1گ رق توق رکاساران ےکر ریب ے فع ` 
کر دا مال پوچھوردو کے اوت ای ویر ہار کے غار نیس جا ار وگے۔ا لیے مدکی شا ون سییر کسی تتو ارت و 9 
وک جاغا ےک ایک طرف توا ی نے فقاو قد رکے مل کو ہا ےکر ویاو و ری طرف اعا و اشعال ےکر ےکا دی او ریچ اس لہ 
یی نین ا 1 ے شیع فمادیا اور 04 کررے ہے ال کاش رورت ہے انکارکردیاجائے لو کیا بان وکاک ۱ 
فداکی جانب سے رج اس a PORE,‏ اور رسولوں کی بشت نع کا مت ر ادام غراو یئار گل اکر نکی رتپ ربا ر تاباوج 
موی کوک چ بش نیزر کرو سے ہوا کے نس کے ق رر میس چت میں پاتا سیا موھ وہ جقت مل ب جا ےکا اور سس کے تدر 
دوز کچوک درد وز شل یتر ہا ے۴ وان ر مولو ںکیعشت اور احا واا لک ییار ریک کید کوک ضور ت با لے 


۔ے۔×سد 


ارک چدیے ا ۱ مت 2 ٠‏ لد ازل ) 


کیا اس حشیت سے تھی وکھاجا تو خیال نل مت ہوگا۔ یس 
مہو ال رسس کم استی ا O‏ 4 
۱ کی ہے٠‏ ال لن ےسیا کے ظاہر یم لکودی کہ اس ےک بادوزٹی ہو نے کم یش ای جا سکم کک یہ خداکی می پر موقؤف ےک 
۱ ربخ من یش ا! دہ کو چس( امو ںک نا اباب یج کرد او رج کو چا اچ شل رم 
تج رےے)ہ ۱ 
| © ئن تھی نی تغب قافن رمزن شای ل يدوسم ن ید یٹ عمل هل ار رامن تخر 
الْجلةَوَيغمَل عمل اهل الْجَنَوَوَاندم نال الَرِوَل اعمال بالْضواتيي- نمي 
”اور حقرت ”بل بن سی راو پک آکاسے نجار ا نے فا دو دوزتیوں کے سے کم مک رتا ے کان وہ تا سے اور 
جنول کے ےک کے ین دددوزٹی ہودناے و (ضحجات دعذر ا )وار و ارتا نے کل بار و ا ) 


شس :اک عدنیت تے وی حعدی ٹک یتوش لر رک کہ اعمال ہاب کا اخ ر یں ہکایک ان اعم ل۴ اعختبار ہوک کی ر فا ہوا 
ہے اک سے کیک چات وعذرا بکادارودار ای کے غات پر گا غاتہ ال ہگ وی را کی متوں :وا کی کی مارت سے نرا 
77 اور اگ رقراٴ تواست فا تر ل ہوا آوچ ری اب مان اک یا جا کال . 
چا یہ کی مد یٹ نے شرا ایی بات وار کروی یدمک پاس ےک ذز ن۷ا اک 7 یش مصروف رے اور 
ہروقت سعامی راہ سے پار ے ال ےک علوم ا ککاوق تآخ رک ہے اورو گناو ہا رکا ائک مو تکازیر رست 
بر ا ادوچ نے اور ا ےو کی بھی مہات لے سن کے یہی وہاں کے رای ران و ماب می نگ ریا ہو ہے۔ 
` © وَن عَايسَهفلَ دی زسزل اله صلی الل عليه ملم إلى جَتازَصَبي مَنْاللَصَارفَقُلتَيَازسزن الله 
بی لذا کہ عُصْفْرّمِن عَضَافیرِالْجََة لم يعمل السو مدره فال آوغير ذلك يإعاغة بن الله خلق رذج 
اْذِعَلََيزلي ملق اضلاب اہ ۇق لل ر افلا لهم لاوم فن اضااب ایل 
”او ز حشرت مائ فا ہی کہ ایک انما رک کے جنازہ مرکا ر دوعا پل کبڈا کیا شس کہا یار سول اللہ ااس پ کرش شر ی ہو س 
ے آوچ تکی یں شں لیے" ی ےکر یام یدرد برا کیاحد کک جیا ”خضت ج نے را“ عا کیا 
J‏ سی کے سو اچ اور ہوگا٢؟‏ 17 کیا UN‏ تنم وم نکر دیرگ خدانے چت کے لے فی لآو ںکو ید اکا ج بک وہ ا ہے ۱ 
الپ ں کی پت یش ے اوروز کے لن ھی عفن لوگو ں کوپ لے ج بک وہ ا کے با کات شس تھے ۔ کے ٦‏ 
) و :اہ رتو انس مد یٹ سے یی معلوم ہوا اک جقت اوردوزغ شل رانل+ونائیل وہر رل ووف' یس ےکک ےھر ےی سما ے ) 
ْ جرا سے اک جاع ی کے لے ازل خی سے جت ہے وی ے۱ یج 0 نیک اکا ل کر ار تک رس :ای مت 
EE‏ ای ایا ے چ ووز مل تق پاک اواو اس کے اکال بدہوں پاد ہوں لیے لڑکا روغ کے 


ب ل بن بی کا یلام تن ھا بر شس آنحغرت کی اللہ علیہ و نے کول رکھا نیت اواسیای اور شی سے ابی کی E‏ 
ہر میں تر سال آ پا اخقال ہوڑے۔ ` 
لہ امم این مضرت اہ دہ رغ ائلہ تال خنما: س ات ضف لسر ٣فض‏ ےت 


ر تی اور جوب روجہ ہو یں کا لقب مر ی ہے۔ آپ کی وفات کے وقت جرت اک کی عم رصرف اشحجارہ سال گی ے۵ د ۰ھ می پآ پکا اتال 


۰ ات ا ىہ سی 


مقار مي جج : ۲ ۵ج ۲ : ۱ بلڈاول 
) لے اگ یاھاترددہزخ مس لے نا ےک ارجا کی ے اب خُل ا عمالبرصادر یس ہو کے ں۔ ) ۱ 
نا کے برخلاف ایت داعادیث اورعلاء فن علیہ اقا ل ای ہیں جن سی بات مت موی ےک صلا اکر ٠‏ 
کی مات ولک ہا ےرت یی ہے کار د شرن کک چو کے یئ کی لچک دہ جب 


ار و ا 221 
ازا اب ال حدی تک تو پک کی جا ےک یکچوہ ضر ت ماک ےا گنت ہونے پا عزم٭ ین کے۔ تم پیھک ٰ 


گیا یس خیب کاعلم ہے اور خداکی حت وم ش کی رادان ہیںہ ال لے سرکاردد الم پا نان کے اک جم وشن پ ےکی 


ال لہ سے اس و ٹوک ناد کواب داق اقرارکررتی ہو جو کی بر کے ے ماسب یں ہے 0/0 
اک حتت ہت کاب ارشاد ال وت تک ہوگاجب تک وف کے بی ہو ن ےکا مدکی کے زر معلوم ہوا تاراش ٣‏ 
© رخ علي ق فان زمزل للوصَلی الل عليه وسم مالک من دالا وذ كيب معدن لار وفع 

ف الْجَتَقَالْزَجَار شزن الله اَقلا کل عل ې کتایتا ود ةلفان اعملوافکل م ميزلخاځيق لئان گان بن 
افل الَْعَادقَسِکْزلِعَعَلٍ لادوم نان اَطْلِالشْفَاوَوتْسَيكرلِعمَلِ سی اَفَاَمَاءَ اَی 
٣‏ اقی وصق الى قيشر ى الاب فن مي ۱ ْ 
۲ ”اور سر تعکر مال و راوگ پک سرکار روعا ۸ Ê‏ کے قر مایا a‏ 0 رک وط ھالنے جت اور ووز می لم 
وئ ےن ین ہیاک کون لو کی ہیں دو رکون لوک دوٹی ہیں مھا رک نے ۶ر کیا یارسول ابر کیا پت فوشتہ نظ یپ 
برو کر یں اورک کر چھوٹ زی ؟آپ ê‏ قرا کرو ای ےک جوک وس چ کے لئے اکا اک اکیاے اپ اے 
سی وو وی رک کی ہے لزا جوف نی کٹخ ایل ہوتا ہے خر ا کین کے اعا کاو نی دج دو رجف نی ار 
ہے ا کو رک کے اغا لکا مو دیاجا ا ہے ا کے اھ رآ شور تا نے ی ایت پیا( ر جم )یں نے خداکیاراہش ریا زار 
٣‏ کی اور ایبات ( د د الام )وج اا اس کے ے: اک یک (جنت )اما نکر رس کے یں سے کل پکیا اور (خواہشات ) 
شال درنادئی جک کش اچ گا نحر تک تول سے بے پردا کی نیزحدہبات وین دا )ر الا جو اس کے لے ٣‏ شل 
: پل (ووژ گی راو )ا نکر دی س "اجار ے ہے ۱ 
شر :حضت ب کے جوا ب کا تاپ خاک ی 4 کل پر ےک کے ہر ل نہیں کہ 
ہت وو رخ کا بل مق ری شککھا جانا اور چا اک کے ہروشم ان ہو جانا الہ رن نیک کٹ ے او رکون پر کت٣‏ | گال ورگ رن ےکا ٰ 
٠‏ اکٹ یں ےا ا لے کہ دا اا رومیت والوہیت کے اتہا کے ور چو وھ اجام دبے یل اور چ وتر لس روپ عار کے r‏ 
191 او کنا اود اکاک چیدر یکر تقتقائے وو بت رول از ور راے 7 گل یریک یو رن کا نتان قرا رو ایا 7 
1 ےلم ج کوٹ ی لکر ےکا ا یکونیب بت ھاچا ےگا اور جوٹل نمی ںگمر ےگا ا کور بش ت مھا جا ےا او کر مکی نی ری مال ' 
ھا ےہ رآ کے ٭ ۓ کی کے تقر ری یک نت ہوٹا اھ ریت ال اوور اکر ےگا او کے مقد رد نت ہتاھک اہ وہ 
اکال کو وکر یش ڑگ 
ا کراب طاب اللہ ہے و نوا یاک ست ملف ےو جوگی سو کر ے۴ اک بر اے اضفار 
N‏ نشین حضرت ع گرم ووظ روہ مکار ود عام سی اللہ عاي وم کے جیا زار چعائی آ پکی سب سے لاڈ صاحب زاوی حشر نے ری الہ تیا ہا 


کے شور اور چ ل راش ہیں ہن گی کنیت نیت الوا سن اور اواب ے اتر شو رشان ھن آب نے اتان راز ار بارت کا ورجہ ایا ١‏ کی وثث 
ند نیت سد شس 


مظاہ رس رر e‏ ا ۱ ا 2 
ہوگااسی می ل کی کے چ وکر کو وغل یں ہوگا۔ ا 
(۸) وَعَن اب شرێرةقال قال رشۈن اللوضلى اللَهُغَلَیهوَسلَمْ االله كب علی ان اذم فين الزن اك 
لا مْحَالَة فرن لع اله وزنَ الان الْمَتطِی والس تَمَلى وَتْشْمھ وَالَْزْجٍ يُصَدَق ذلك وَيْكَذَبْمتْقَقٌ عَلب 
پور E E 1 OT E ON Pt‏ 
هما الإمْمِمَاغ الان زناه كلمو زتها اش وَالرَجْلُ را ناقلب تهؤى رع ربصَة 
ذلك افج 0 
”اور نضرت الو چ رر راوگ بی یکہ مزر ووا سی طط نے ور شارا ”دانے انا نک قرم متاح زنک ا دہ 
رود ال ےگل سآ ےک گہنکھموں کا زنا ٹون رم کی طرف دیکھناہے او رتبا نکازنا نا گرم عو رآوں سے شہوت ایی سکر نہ ا ورتس 
آرزددخوائ لکرتاہے اور شرمگاو ا ںآ رز دک تد کرک چیا گیب( جنار کم اک ایک روات ےک ” آ کیاکی خر ری نا کا 
عا تھے کے رہاگیانے؛ e‏ وو قرو ر لش لا ےگا۔ کو کا مم می رب اکنا سے :کاو ں کات رع کر رر ورت سے تم ا ا ار 
ایس سیا ہے اور زا راع گرم عورت سے شہوت| ایی ہاش کنا ے اور ت ھول کا نانا گرم ورت ویر سے ارارہ سے )چو ے اور ٣‏ ) 
۱ او کا ازب اکا رف ) جانا ےاورول توا وآرز ورا کار رمک 10 صر ا ارب رتیے۔“ 
رر 2 :ا ویک ےک کی رم ورت سے پ رکا ری مل ما ہی کل و لو بھی یازا زک 
انان ہجوت زناکے لے ہاور چ رکھت یں پاچد ان تک ہے ہیں مضلاسی نا حرم عورت سے شہوت کیرش کرنا ا رظ 


سے ا لک طرف وکھنہ پائ ے خیا ل کے ساتھ ان کی اتس سنا ایارے اراوہ سے اکان کے بوت اک ر گت ر ے شیالات کے 


سات کسی ارم عوربت کے اس پان یہ سب چچزہیں جک تن نکی برک ہیں جآ گے چ لک ب رکا رکش اکر ارت ہیں اس لے 
ا ن کو کی تازا کہا اتس کہ ان کات و اسیا بک فرت وکراہت دو یس بٹھ جات او رلوک ان سے بھی ہچ رہیںس 


رال ص رث ہے معلوم وا کے ج ں س کے مقر رش زک جتحت کے دباجا سے وہا بر oS‏ 


٣رر‏ کی ونس از یز اہ وازن نخر لوا افمال ے ٹوا راتا سے دواان سے پازدتے کی اورووان چول > بھی 
بیکرت رتے ہیں یک موجہودگی س کیت ناو کے خیا لکا گی شاء ا اتا نو وم تک طرف نے جاے بب 
ےو 

رم اوک لو گی میس ان انان ہوا نو کاظلام ی چااے او روو عاط و 7ا غ زی نوور 
ہے تو کرشم کاواس کے اس تل و نا ائزخوائش پرک لکرکی سے اورزنامی لا ہو ہا سے تک ا کی تد ہو سے یا اک ری 
صا وشو اور یدک عذاب سے لااو کے خوف سے با ہوا ہا وش ما کی وکل سے ا 7 
درا اودرو یکا کی ٹیس لا یس ےا سک مزب ہو ے۔ 

© زخن موان بن حصي ن ارجا ین 2ب ردزن ارايت ماغل فش ایز وََکَدَحُنفِیہ 
ابی فض عَلَيهم تی فیهم من قر سی فما ترون به ما اهم به نيهم تبنت الح بهم 
فقا لا بل شىء فصي عَلَیْهم تی ونوم ودی ذلك فی تاب ال روج تفس وَماسراهًا فَالْهَمَه 

جۈرھاتفۇھًا- ( اہ 

اور تضرح راان ری راوک ڑںک ایک رجہ یہ مز Es‏ بار سول ارا 


بل لہ آپ کا کرای ران این کا او رکنیت الو ید کے آپ خی رکے سال اسلا کھت سے مرف ہوئے تھے متام مو اھ وفات پل ۔ ۱ 


1 


٣‏ مظاہرن رر ٣‏ جک pé‏ ۱ ِ لم ای 
میں تاک وی س لگ تم ل کے ہیں اور اما لکیاکیشش رش گے رچے ہیں ہکیایہ وی سے کک م ہو کا اور 
وش بن چا یا گل ان احا م کے موا ہیں ج تید ہونے والے ہیں ش نکو ا کا Ê‏ لا بے اور جن مرول تا ہو نی 

سے ”آحضت که ا "یس یہ دی څ سے جس کافیصلہ وکا ار نر بن کا اور ا کی تو کاب اش رک اک 

۱ ےہ نفس وَمَا سَوّهَافَألَهمَهَافْجُوْرَمَارَتقوَاِمَ ین کک تج سم چ انا نکیا جا نک اور انل 
(ذات) ال نجس نے اس کون ان7 کب دروا رک اور ر ڑکا ری( روون )الا لاہ“ 2 ۱ 

شر :سوال تاک ار سول اٹ ر فقاو ےکلہ ونام لوک حت اکا ل کے ہیں خواود دہ عمال ترہوں یا گال بدکیامی وی ہیں 

جوان کے ے ازل ی یس مقدرہو گے تھے ا وزاب وقت پر ورا زی ہوتے 20 رو ں جو ازل ۴ی٢س‏ توان کے ےا لوت زمر 
شک انیس سنہ اب جب سو لآئے اور ہوں نے خد اک جاب سے وت گے مجزات کے زرا ای ماقت کا اعلان اور اك 
اک و اکال کےکرن کان دیا تو اکال تو یذ ہے گے تو ,ُ سی ٹل می سکیا 720 کہ یا گال ند ذل کے مود رر کی 

.سے می کے ہوئے تھےبللہ ابے اختیار سے بی اعم لکرتے ٹیل ا ہے ودا کے اال ہوں یبر سے ا مال؟- 

رگا رسالت سے جواب کیا کے ی اکال دک یں جا لک سے بندول کے قور لآل سی سے یں اور اب او لوش شر 

٠ ۱ ان اب ا وقت پر صادر ر ےرے کا‎ i ٣ 

٣ ون أبن هرير فان تيا زسزن اله اتن رَجُلٌخَابوَآن حاف على بی ات ولا ادا اويه‎ © ٤ 
لاء کا شاوه فی الا خیصاء قان سكت عن لوقت ذل ذلك سكت ی ا قلت يل ذَلِكَْفَسَكَتٍ‎ 

عقي فت يذل ذلك فقا ایخ صلی الله عليه صلی خر جف اقلم با آنك لاي قاخئم على ذلك 
او ذز (روا:افارل) 
او رر ےا رج راوگا یسکس یل نے رار روا : ê‏ ےکی ار ول الق ایک جواان مرو ہول؛!و می اتے وت 
ڈت ہو اک پرکار کی طرف ال شہ ہوجائ اور میرے اندد ای استطاعت ٹیش س ےک ہی عورت سے شار یک راویں کی r‏ 
اپنے آندر سے قوت مردگا 27 کرد ےکی جازت بے ابم کتے ہیںکہ رار روم اتا ےی گر علوت قرا ٹل نے 

روہارہ نگ گیا واپ اہ رھام وک رب ٹیس نے چرخ سکیا ایا جہ یآپ کے کے فراش نے یھ ای رجح عرش 
کیا اوآ ضرت 5 کے ران ال ر داج وھ ہونا ہے( سے تہارے مق رم کوک ,چو ہز اقتا رکآ 
ی روات کرو "کار 


۱ تر کار ووی مم یت کے جوا کا جا لے جوم کے ہو انا سے وولو راوگ 7 تخاس e‏ 
میں 9لا ہوا تہارے لے وشن ین چا س ےتوب یس ٣ے‏ ادر اد اک رتاوت نے7 ارک الد کار اا 
سے غات ل ے ٹوا ہے ا یقت مروگ مک رکے نام دن ا ی ا نم سے ہا رہد ہر ق میس نی کا وم پک 
رک ر ہو گے ای طرف جف| مک کر اشمار: فر اگیا۔ 

ال مد یٹس اش یل ئل طرف بب او ہے تو کہ ابا پوت کو کے 7اا اورنوشت ار رے لاپ واہ×ہ ۱ 
٠‏ کر انس سے اکنا چان یں ہے۔ ۱ 7 
© ورعن دال نی در قال قا رز الله صلی الله عه رس وب تين اة كهتني ِضیعیں من 
میں سیر سس سی ہہ صلی سے ونم الهم نرف اقاب 
حرف ارم لی ابقر 


ا ہو | 4 n ٦‏ بر ازل 


”اور صقرت بال ب ۶۳ رادفایں 7 کم کے قا تام انسانوں کے رل خد ا 
اطع ہیں کے ایک انان کارل ے اور وہ ایی الگیوں )ضس رع جات سے قلو بک رکرو میں ر ے “ ا کے بج و آں 7" 
ضور پل نے د ماک موز پیر شرا ”ہے دلو ں لوکرو ی میس لان واس تیر امار ے دلو کو اک ا طاع تک زنر" 
G4‏ 
۱ ار 00 E O‏ 
ٰ ورول کی یا کے انتا ش ڑل ۔ راون تال کے لے یو ں۷ مال یں اہر یک کک 
۱ دصاف زات ریات اور ! جس امک نات سے E‏ 
عدیث کا مطلب ی سک تام لوب خداکے قش رف یی :وٹ طرف پاتا دلو کور یا کی تکار 
سیت اوری کنا رگ کی رفا ر1 اروا ابی ای صفتےاورٹی لپ کو محصیان و ی کے ال سے ال کر اطا گت و ترباتردارگی. 
اور یوکار کے راس بھی ام و راچا را لات کے ہے لپک رجا جاور فک ات 
نے رایت ورا کی کے مر زار وں میں کرڑچاے۔ ‏ ےت ٣‏ 
0 عن ان هُرَيْرَة قال قَالَ رَسُوْلُ زز الله صل الله لسم تابن تۆأزو الا ولد علي رة قار هردان 
اران یساب کاخ ية هة جَعَاء هل تجسن فِنِهَامِنْ غا قۇل 72 ةَاللهِ ال فر 
النَاس عليه لا هديل لِخَلَق الله ذلك لذن مم٠‏ نعل 
”اور ترت الو ہرے٭ راوگ شک رار دجام اس الد علیہ یلم ےہا ” جو ہوا ےا ہو ا سس 
تینک وقیو ل کر ےکی اس میس صلاحیت موق ے پیل را کے میں پاپ ا یکو مود رای کرک بنا رےے ہیں ٹس خر ایک چارپاے ۔ 
ْ ب پرا چازپایے چ جا کیم یش کو کیپ سے ب“ ب رآپ نے ےآ حلادت قرا ترجھ ے الل تھا کی ایا 2 
ہو ل ےل پر الد نے مو کور اکاسے :الک فقت می تل تل یس دای دی کم ان "مرن کل ۱ 
شض دا تفای سے نان کل لی فارت کی ے او رفنطرت مرف اران ماد الا ټول کے ازاچ کے 
دراو مامت آووو ای لیر 3t‏ ے لن ناریا ےو معرت سے قاضوں ہے دوروچااے اورغلات! سولو نطرت یں 
کے س ار ن انت واو کی ں لوو کان ےب ر ہے e‏ 
جاک و شال کے طورپ فرایا الہ یر رید عامس rs a E‏ ر ۱ 
کو RNR‏ مبان ٤‏ م اگ رغار ی طور کوک ات تھ ب رکا ٹ ڑالے با ا 2 کوئی شیب بد راکرد ےتووہاٹی 
Px‏ ی حال کور ےا رع انان ماش کے وت وت ارت ت الام یذ تا ےلین ا لک احول: ںی 
سای ی مال پاپ وغیر اس کے ااات و شور اور ا کے عقا ی اپ ہب کارنگ چا اکر ا کے کن وکر اور تلب و 
وبا حک وذ راستہ کر صوثردریے ہیں ٠‏ ش سک دجہ سے وہای ای اور تی نطرت رتا مم کر راتاج لا ا یں وا 
اور اک کے ال پات مسلماان:ہوئے یں آووہ گان رمتا 1 
© وَعَن ان شۆشى قان فَمفتا رسن 7 کیب ت قان ب لله تام ولغن 
ان تام َخْیْض الْمَظ ويره رغ يہ عمل الاير قبل عمل اهار عمل شهار قبل عمل لل ارز 
کے ہیی سیں و تھی نس جک ۱ ۱ 


. اول‎ ٠ PF 89 ٠ ار جد‎ 


”اور تضرت الوصو TT‏ ا نے خطبددیا اورا اق وار شا رفا ی خد اتا سو حایس ے٠‏ اور 
سون ؤ کی شان کے ماسب یں ہے وہ تراز وکوبلند ویس یک رتا ے :ون کے کل سے پیل رات کل او ر رات کے گل سے مرن 
ےئ وشن بے ان ات ارک اور ا کا تاب ور سے جے) آک رووا مار ےکا کی ات ا کانور قاری ر 
زول وجلا ا رخات رکرو ےم 
EE OTR OT TS 2‏ 
ادازتاے اور کی پ اباب مخیشت اور رز کے درواڑے فک ر کے ا مقائی و دی کی ج کر وچا ے :اک رر سی بندہکووہ 
ان اطا کت دفر ات روا رک ادر یوکار ی برولت عقّت و ست اور مرو بے ے اراز ے او یتر ھاو کیاکی ریہ 
ارا اورپ کا ری کی ینار اسے زک ووا ر ر کد ۱ ۱ 
اسیک ”دان کے گل سے یکل رات کے سے کک رن ک ےل ا کے پاش تیار سے جا کے“ کامطلب یہ س کہ ندہ سے جو 
کو یل سرزدہوہے دہف زایا اھ گا الو میت تک یی اتا سے نشی انی سور جع کی فیس کا او کو یل ہاور ہو ےکی با 
سیت بی دمم اک گے ہوتے ہیں ای طرح رات شرو کی نیس ہو کیہ ون ک ےگل وہاں پا 
۱ بے ں١‏ سے وتک اور اتا اے ولیت کے شرف سے لوک اک پ امانا اردان صاد کردا تا ا اکپ 
ہپ ریت 
: © رن ہی هرن ةفاقل زول لعل اله وياله تلائ 3 تیسيا نا سخا أل وهار 
) روَا لق م لق لاء الا فم يض فا فی میم گان عرف على لاء ريده ليران خف 
.۰ رفع نق عليه زی زوا دام تی لله تلائ ون ا 6 مر مَلانْ صاع لا بها شب HEE‏ 
الها ٠.‏ 
”اور حشرت الہ رة زاوی تن کہ رکاردو مال صلی اللّ علے ےار افیا ال تال ۷ھ( می ا کاخ زان 70100007 
رات بروقت خر کر کیا کی کر کا نیس رک کہ جب ےک ای سے ران سیا کور اکا اور چ بک اکا ۰ 
ر را تھا ار کیاے: کنا تازیادہا یکرت کے باوجو ر چو بے ای کے پاتھ لے(“ میں ای کا ری نس مہ کی 
کول ہے۔ اور اک کے ہا ھی ترازدہے بے ووباندو یم گرا ج (چارک سح الو کمک روات ہے ”نرا کا راتا کے آ۴ 
ہواے"۔اور انی بر کی رایت شی ہے(خدا کاہاتھ بھراہ وا اورہیشہ وی دالا رات اورولن خر کر نے کے پاوجور) بت 
ینکر ۱ ۱ ۱ 
ا PAF‏ ۳ حضرت بم تی مہ ںی ای کے لاد کالفا ے اور انالنظ 
یل اک ا 2 گا دی ازز وات ملائ ي ہے او رین الفاط مناسب ہے- 
N‏ نقَالِسُبْلر ےس لمعدر ار ;ىاش کی قز اتاگ ُوَاعَامِلیِن۔ 
میں 
''اور ترب 7 راوگ یں رار وو بت ۓر-- مرکو ں کی اواد کے پاروش پچ اگیا کم سے کے فدووز شش 
E2‏ ہیں کے یاجنت می )آپ غ ا راق alet‏ اکر رہ ر وو 1 کے ار 


ر E‏ ہت وم وم ہے کا رودا مکی ءا لت سل ہہ مرتےادرزند ہر ےریڑے بو رکا ل اتی 


مارآ جرح ےک ا ےھ ۱ کی جلر اڑل 

کے سا مھ جو مواطلہ ہہ گا کی کے ملا ہس ھک خدائیکومعلوم ےکی دم بے پل یادو فرش +وہا ںکاحالت تیادہ 

کوکیامعلرم ای ٠.‏ 

: ا 7سر ت کت بے ہی کہ سربارددعا : کے ےا ۴ ھپ-8و کہ بھی لف مرکو ںولد کر ہو کک زره 
جا معلوم] نس ووقد 

1 بی مہ یس علیام کے لف ,توول یں یک اور وڈ چک کش و ف کر ےد د کو ہاور 

ی 


لضا اللہ 


عن غَبَادَة: ن الضَايتِ قَازة قالزسُزل الله صَلی اللهعَلَيوَ اون مَاخَل لئ رن ا 
اکب قال اب افدر فَكَتَب مَاكَانّوَمَاُوَکالن !لی الأََدرَوَاۂُاليِزمَدِی وَقَال هُذَاحَدِيِْٹ غَرِیِبٌ سادا 
ااا پارو بن مامت راو ہی کح رار دوعا مغ ۸ ار شارا را سب سے لے EN‏ سراکیادہ کنیا چا :1 
کرک اکم زی م که نہ العا می ناک یالکھوں "ا رکه لوریت سے جواپ لا ”نز ر اعرا“ لزا ا سے ان چزوں اجو 
اب )ہوک ںاور الناپڑروں واج تہ 0 ں۔اعام زک ھ7 1 رت اورا ہیا ے اور کہا ے پک 
سم 
ارعن مُلمِيَسَارِقال سیل عُمَزيژ لْعَلَابِعن فذْوالایة َإِذاَعذَرَبْكَمِنْ )لب نادن هرهم ذريَهم و 
قال غتر میت مزز لار لی فعاو نئل هقان إن الله لق دم تتح نيجه 

اک من سام نات ہپ الو ست 1۳ لزنم س ODEN‏ 
فقال خَلقَبْهز لا ار ِوَِعَمَل اهل ليارِيَمْمَلوْنَفََالر جریم مَمَ لی زسزن اللَوِفَقَانَ زَسُزلْ الله صّلی الله 
لمان الله اق العمل ِهعلِ اَْلِ! لْجََّة حى يؤت على عمل مِن اَعْمَايِ ال الج 
يذ له یہ الْجْنَة وذ عُلَق اْعَبْدَ للتار تفخت پتل آهل اقا ځلی زت على عل بن غا فر الٹارِ 
۱ يجله الا - (رواہ ا اترک اراو الا رای 2۳ا) 0 

”اور تشر تم بن یار راوگ یں :2 نضرت ررد ہے ال ایت ار واحذ رك متخ اين ژزریع ڈوک 

و اهدهم على اله لشت بر تبقل ابل ىشْهڈتاا الات مَاليَيمَةِإِلكَنَاعنْهْدَاغْافلِیْنَ ۶۷۱(۵ اذ فىص٤٢ءا)‏ 
رچ "اور ج پآ پ کے رب نے اولارآ رمک پت سے ا نکیو لا کٹا ادر( سب بج کے خطا کر کے) ان ےا ںی ےن اتور 
لاک یس ہار ارب کی مول ؟ سب نے جو اب وا کیو فیس ا سپ ای وا کے )راہ ے ہیں اگ رق لوگ امت کے روز 
ہیں ہک ےلرک متو ا تو دی مض بے نرت اق سوا ل کی اتو ہوں کاک جب ا ای کے پارے می سد 
وی ھا سے سوا لک یاک یا تون لن ےآپ پیل کوفریائے ساگ ال تیا ےآ ردا Us‏ ےد اھ کہ ھ6 
یس سے ال نگ ادلا رکا اور ترایا کہ یں ےا نکوجقت کے ے اور جتترں ے ےا مال مر کے لے جووہ وک ری کے پلاکیاہے۔ 
ابا کر آرم ال کشت پھر ااور1 سی یس سے انی اولا کال اد فہایا ہش نے ا نعکودوزغ کے لے اور دوڑ حم 
. گے کے لے چوک ری کے بیدا کیا ہے ۔ بی کر ای تھی ےکھا ر سول ال اپ رح للکیاضورت ے ؟آحضت پا نے 
0 ار ا ۰ لوجتت کے کے ہد Eee‏ 002 


لار بر 9 لر اڌل 
وس سے اال پر بال ہے چا TOOT OETA‏ یں RTI‏ 


کرت وس سے دز خی کے سے ا مال ماو رکچ پال کک ہا دزن ےئال پ راچ ن اسے انال کہ ۱ 


ْ دوش ٹل ڈال دیاے۔ "خاک 7 زگ اہراؤدا 
) تر ہے ہہ اعا الم واج میس ہوا تھا جیا اکہ دنر احاویث ںآ اہ ےکہ خداوند قد ول نے ا نے 7 ایر 
تک دای آنے دا خی ںاھی دیو ںی کل میں تیاور نکنل ودا کی ایت نرا اد ریت الیک 1 
بے اقرا رر ایا 
۱ ولا آد مکی پت سے ا کی الا کال ےکا مطلب کہ ازل سے ابد واش عت اسا 
نکیا وا زا ی ی شل آتحضرت ETTORE DAT‏ 
انان یر مائ ےسب کیت سے اک ول الیل e‏ 
| "دا کے کے پیر ئے لئے ہر نکیہ خد اول ر کر دک نے فرق کو داب مات کر E,‏ ٌ2 
' ظا ہک ات سے پک وصاف ہے یئار ہکہاجائ ےگا سے اوت وق در ت اظہار متصورےں' ۱ ٠‏ 
@ عن الله ن مر وقَالَ عَرَخ رَسُؤلْ اللوصلی الله َلبه رَسَلمْ وی دہ ناققا انز مَامَٰانٍ 
الكتاتان فلت لا زسزن الله ان تخبرتالَقَال لن فن تو الیغلی هاب من ر رب بالعَالمِيْنفِيهَا اَسْمَاءاہل 
الْجَنَةِوَأَسْمَاء ابا ماله منم امل على اجر لایر مز قش نو ابا تُعقَاللِلَنِیٰ فی ماله 
ھهْذَاکِتَاتِ مَن رب الْعالْمیِنَ ِيواَسْتاآء مل لنَارِوَا ستا٤‏ ابائَهم الیم وَاَجْمل على آخجر فلا ر زَاذْنْهِمْؤ ل 
لقص مِنهةآبدافقال حاب فقي العَمَلْ ُارَسٰزل الله ٤ن‏ انا ام لغ لان سَددۇاۇقاريۇ 3 افْانَصَاحب 
جن يْخَْم لَه,ِعَملِ اهل لجان عمل ىعمل وَانصاجب ارد َل عمل آهل النَارِؤاِنْعَب لَاَىٌعَنَل 
کن زشزل اللہ صلی الله ولم تہ مُا لن قرغ کمن لهد فرق فی ورن فی ۱ 
السُیر۔ (رواہ الک رفگی) . ٣‏ ۱ 
”اور نحضرت عمال بن رو و راوگ یک (لیک ع2ا سرکاردوعالم 85 زار لان بین کے ہاخھوں می وت ہیں یں 
او اصحایہکوخطا بک کے ہوئے )قراب چا ہویہ دوتو ںتناڈیںکیاہیں ”سے کیا“ یارسول اٹ ایی ںکیامعلومآپ چا یج 
ر( ےکا ںکیاہیں)آپ ٹپ نے ا کنا کے بارش فا یاجودا نے اتی لع الہ بے خر یجان سے سے جس یی ال جقتان 
کے باپ اور ان کے تیلوں ےم کیہ ہو ئے ہیں میں٠‏ اھکر دی ہے لا ای شی شی میس ہو انس کے بعد پا مان 
وا ل کاب ےن فر یک یہ غ رکا سے ایک زی کاب ہے نک پ ای دزی ان ےباب اود ان کے قیلوں کے :من ہیں پھر 
aa‏ ینز یکروک ے۔ ہز اث وا 0890 نکر ھا نے ہجوت کیا ر سول ال ! ارچ ر ۱ 
۱ کے سے بی مے ہد ہنی ہے کہ جلت ددوزغ ہڈا رتو تز ےت چک لکیکیاضردرت ہے ۳ آنحضرت پا از د 
۱ ریت کے مطاِ نے اعا لکو) اک رح مضو کرو اور ن تنا )قرب اص کرو اس لی ےک کی کن ت ایل ج کے اعمال پہ 
ھتاہ خواہ( زی بھی) ای نے کے ی یک یں کل کن ہوں اور دو یکا انل دوز غ ےل ہو جا ے توا ای کے اعمال کے 
ار ر خضرت ہے نے اپنے ددنوں ہانتھوں ہے اشما کیا اد رکا ہیں کو رووا“ شال دی اد فیای ”تر پور دگاز 
' 2ص9 "0 اک جا ع یکی ہاور ایک مات روزگی ہے ر( 


ارم اق E‏ وھ ژال وتا انت کے لور یں ایک اس طرف اشارہ مفصو دج اکہ با رگا الوہیت سے اس معللہ 1 ا 


مقار پر . ٴ ٰ ۷۲۴ 2 لاقل 


پر کو نکون لوگ ازل یسل Pe‏ بت 

ا ہرک طودی تو اس میک ےہ معلوم ہواکہ سرکارد وم پچ کے رست مارک مس واق اہی تس جج نکوآب کا نے 

اب تیا کو ھکل بھی تھا ۔لیکن ان کے ائد زج ”شون کے ہو ے ےو میں وکل کے تھے 75 یس صقرت فریات و نک ہے سو 
4 21 نین ںہ آپ وت ےتال کے فورےا کی اراز سے رای اہی مس سیا ہہ کے ین 0 ٣‏ 

© رخ اہی جرامة عن ادف امون ارات زی نشت رها وذ راد كداۋى برق ایام ترذ 

مِْ قَذَرالله قال هی من قد ر الل (رہاہ اج اترک داس اج 

”اود ال ڑا سے دال درم سے نف کرت ہی کہ انہوں ن کہ اک عم نے رار رومام پا سے مق ایر سول اللہ اودحرات 

نک چم (شماء )کے یں اور و دوائیں ج نک وم( ول کت کے لئے ) اسقعا ل کرسے ہیں اور دہ رچری شن ےم 
مات ای کے لک( اعالاد ر زره و را کے یا ر س کے یاس جک کیا سی چیا شیر داب ایا ۳ انم ائرہو ہا ۱ 
ی 'آفحضرت ین نے راید یں LIE‏ "اچ ر at‏ 

| ت0 جوا کا مطلب ے ے کے جس طرع ار ورا مدر یں اک طعا ماع اوہ ان سے حا کے اباب یزرد 
۱ زی ےطان ہوتے یں نن جس رس شس کے مقر رکو ارک کک کی ہے تو ال کے ساتھ ات ےکی نوش رر ) 
٦‏ بن اسک یہ بیارفلا وق ٹل اپ بیارلکاعلا کر ےگا اور کی ےہوچ کا ےکا کی عاج و مجالہ ہے اسے فدہ چو کیا ریس 7 
فا ہوناکھما ےتوفاہ ہو جات ےگا او فدہ ہنا لپک ےت ویش وکا ال لے اگ رک پیارنے اچ جار لگاطا عکیا 009 
نیس ہا تو ا ے تاا ےکر وزم ناس ی اام کہ ایی علا کر یا نی انت کل خا ری اباب کا ۱ 
سار الینا وشن نف رب کے فلاف کیل دے۔ 
تو ےکی سے اور ھال ون ک کا مسلہ ہے ہک تو کنادے 90-0-77 
کن اورو رتا اکر اسماء وصقت ای اور آل وھ بف کے مطال ن ہو خزا ناو ہوڑ یکره گال ہو کی گنن رامو ْ 
ک الع چڑوں سے یقرت ارہ وک ٹوا مرش ای ہوبانہ ہبہ قرو مرک شاو ح تکاعطاکر نے وائ اوھ راے ہے حرف اباب و 
تک کے ورج یں چ ن توا کی کل ہہ چرں جن ہو کی گل کے بر لاف ہوکہ با وکنا و رتو نے قی رک ہوں 
ٴ تی یس سس ۲ 

9 وَعن امیر تر عَلتار سز الوص لی لسم لزغ فی ار جب خی خت ٰ 

وَكهُهُحتی كَالمَافقِیٌفیٰر جیه حب الڑ مًانفقانا بهذا ایر مهدا أرب رست الیک ِتْمَاهَلِك من گان فلگ 
جن تئازعۋافیٰ هذا لر عرفت عَلَکُمعَرب یکم ا ازا یہ ابی زی ابی ماح خو 

عن عمرو بن شُغیب عن او غن جد 

”او رخضرت اوہہ راو کہ دا رن فا وق رکے سک پک ھکر رے ےک مر ونیم ظا تیش ۲ے یی 

اس مس یس اداد دک )آپ پل کاچ انور حص ہگ وجہ ے مرخ ہوگا اور انی معلوم ہوا تھا کو انار کے دا کے آپ پان 2 

ر تار ما اک پ کے گے ہیں رایماک )اپ تا ہے نر ایلیا انی ال تچ امو گیاہے او رشن ای لے ہار سے پا 

در سول اک کہا ہو ؟ پان لو حم سے لہ لے لاک تک وا وک شش پیک وس کے ا ہوں نے وس سلسلہ میس ابچھنا 

پا مطل بای تھا ڈرال ہیس اس مات 1 اول (ادر uss‏ وتاہو ںآ سا رکٹ کیا از تر ا AFT‏ 


8 ا زم ای ٹیس انتا کے دال کا ۲ یرت جو الي نے بت ردانت ار ے یں ای رام سے ic‏ روایت گر ے شل 


م اہی جو 0 ۱ لد ازل 
اچ نے اک ط ر اکر دایت ریب سے ٹف کی ہے جو اہول سے اپے دالدسے اود اہول نے اپ داراے ردای تک ے- " ۱ 
شر :می ہیں می ی کے میا پک کرر ی تھچ عاب قو کہہرہے ےک تام وین ال خائ یکی ہاب ے اش ' 
نف رر کے مان ہہ ںو یر واب دو اب کا7 كت ری راز a E‏ 
ترا IF‏ صیغ ,مت سے f‏ ”ناون کوٹ و ہت کے لے کیا اور انسانو ںکودوزرغ کے گے سر اکیاے؟ ؟ یھ صا 
ا کا جوا کے ای لے ےک انایو چا خترات کی قال ےکر اور کر کادرےدیاہے ای کہا اتا 0 
اےدی؟۔ ۱ 
رال وگو ہو ری تیاور ئل ووا کے مل رھدا کے اس رازو ملح ت کی تطبقت تک کیج کیک 7 
ماز یک مرک ردد عم کک نے ج ا نکو اس بت ماس میں مشغول پا وام و قضب سے ر ق ری مرخ وکیا ا کے محابہ 
٣‏ ورا ا کیہ سے نطفر کا سل خید١‏ ایگ زازوبھیرے 4کاپ ظاہرئیں ںکیاکیاے اڑا سای ی لڑانا اور وروش کر یراہ 
١‏ .انتا رکرناۓ؛ چاچ آپ ان نے فما کہ س لس لے دشا میں نہیں بھی کی ہو کہ تیزم کے ارہ شس تا یں اود ای شبٹ و . 
ْ اح کرو سر بشن م ۲ مقر صرف یہ کہ تدا تال کے احم م لوکوں تک پچ دول اور اطاعت فرانبردار یکاہ پیل 
۱ اکاڑل ۔ دنو شر پوت کے ف1 تس و اکال کےکرن ےکا می کم دوںاپذا نیک ےھ ہو نے کے نا پر صرف اتقائی فشک ٠‏ 
انام وڈ تیر مرک کرو اور* جن کال کےگر نے کا اس گھردوں! کبیا I a‏ و کیا نفد مر کے اہ وب 
) مس سیت یک رز ےب کی یقت وکت وی اتا ےہا ںکراکاکا ماپ رز ٰ 
رو 
۱ آر ھر یٹ جل صاحب تلو E‏ امن a‏ یئ 2 کر بت گیا ستدکا َآرکیاے؛۱ سے ے ےی دہ یر ہش 
شیب نے اہن واراے نف کی ہے چو عبدالہ جن گرو نالعا ہیں اور عیب سے ان کے صا ڑارسے گرو روا تک رے ہیں اک ۱ 
2 ای کی می روب شی بکی طرف راک ہوگ اور" من دہ "کی یر شعی پک طرف ران ہوگ ای ےک گرا واوا 
سے روایت یکرت و کیہ لن کے داد بن عبدائلہ سے وہ روایت تول یں ہے ١ے‏ سلسلہ فب ا رع ہے رین 
بی ٹین براش گی وکن ہے ٠‏ 
ئا ےا وسیک لادی ل ای شیک ارام من بد ا رکرو این شی کی ۱ 
رف را ہو ے ین یپاں ا کے برخلاف ہج 
© رخ اہن ئۇ شى قال شینٹ رمو له صلی لخب تر رۇ الاق انز ین قاين 
ججمیع الأزض فَجَاء ب بوا اذم على قذر الأزض مَهُم الأَحْمَر وَالاْتش رالود وبين ذلك وَالسَهْل 3َالْحَزْنْ 
۲ ل اليب ز رواد ات وارز اردان 
”اور ترت الوم وکا اوک ہی ںک سرکار دو عا مکی اللہ علیہ کو قراتے ہوئے سا ےک اھ تا نے عنرت جم علیہ افسلا مکی 
یل ایی ی (ی) ےک جوہ رج ہک زک ے لک ذا د مکی ادلاد (ا یں زک کے مواف نپا ہوئی چان (انانوں مض 
کر سد مشش جس ورمانہ رج کے م مزاع ھن نمزو پاک ار ,شاک یں“ 


(ار ؛ تا ٭ابدائد ا 


22 رت ومک یق کے وت ای فرش خخرت مز ل بی الا کہ دا می بے سی نے انچ ب ٣‏ 
شو ا وزی ا ا ا ا ار 


ظا رک و تی I‏ ر پر اقل 
یی اولاوٹش لف رک و 7 و ری یں ہیں او کی کار کر چا ےا ا 
مر یھ ان اتی طییت و مزا کے اتبا سے نرم خو :خی اغلاق اور یزان کے ہوتے ہیں و لوگ کی طیجعت مخت تزادرغیر 
مترل بول ےی انان تعر پک وصاف ہوتے ی دوج مدکی جات سے لوٹ رت ہیں اور فرق د لاف ای 
ای اود وج سے ے لی نے حضرت ار م علیہ اسل می یی کی ۱ 
© عن عببللنی عَدررفلِ سةك شۇ ل الوص لى لعل مز لاق قاين فی ٴ 
۱ سس س یدوس سی دس یت نف اَم على علماللب د 
ا ۔.صااھ رازگ : 
او رحطرت یداش جن گر 90,07 ۰ کی ڈیاتے و سے نا کال تال نے اق مخلو جن وڈٹس) و 
کات ر زسے شس پی اکا او چ رات پر اسے نو رکا رتوڑالا: اپا کو انور روک تراک دہ راہ رامت کی اونڈ امقر e‏ 
7 شیا یں ے رن اکر چا رہ اک سے مج کت ںی کیک چا چک اب ترم رتل کن ) 
لاا ٠‏ 2 
تش اندمیرے سے مرا سای ویو تر ہیی 
را امان و احا نکی ر نی سے فور موی اورا کی کے طاععت انی سے خد الزات کا عفانم لرن ووم اس بار کے گروریں : 
اور ۱ ای خلت ے ملک خدا “اکا کے لالہ رش گیا او جو لے وس ےک ری ہیں سکرطاعت ای کے نورے 
کروم دادور یش ار ہیا ۱ ْ 
© رخ کین کن رم صلی فعاو وسم کوان فز عقب قرب یٹ تب خلی بین ٤‏ 
تپ شی ربكا جف یو نس می سے یہ سس 
کیف يسآ (رواہ اترک داہن چ) ) 
) ''اوز حشرت ا 21 راوگ ہی سکم ربکا روا م ا ارو ETE TT‏ 
ا دن قم رک ا کا ر سول الا پا نیان لا اد رآپ ا کے لائے ہے دی دشریعت کیان ۱ 
ےک ا اب بھی مارے پادہ من آپ ا ڈرتے ہیں کہ کی رہد ہو اکپ کا مے فاا ےک قوب کی 
انگیوں شل ے رو الیو ران یں اش کے تصرف د اتا میں ادرو خر طح چاا کرک مر رت 
غ ”ہف اا . 
رع :حت نر ےکن ےی مطل بے تال ہآپ خلا تال مم اور نز ور کی فا شا نان ہبی آپ 7 
کے اندر یں اسک ظا ہر کہ یہ دع آپ پلک ہارے لے وکرتے جو ےک ہیں ہم دنا نک دک می پچ نکر ایغ دید 
۱ امان پا ےگ اوت ہوا انی وکیا ۱ کی شل ج بک ہآپ E‏ تیار سے دران س٣‏ ہد اور “اپ ا گیارحالمت اورپ ê‏ 
کیل بوش ربتک صدراق تکا مقار ر کے ہیں تیارس ےتلوب اییان و اا نک یکیفیت سے مشار ہجار ےکر 0 
۱ فرش ہو سکیا ے اس پرسرکاردوعالم ا نے جواب دی اک لوب کے رد کے تھ می ہیں اور رح چاہتاہے ا کو ییار تا 
ے٠‏ ات ای ا سی e‏ ۲ 
۲ رہ او را کی 7ھ ْ ۱ ۱ 


مظاہ ری جو ) ۱ ۵ا ) 7 ہت لاقل 


وغ مُؤسٰی قَالقالر رن وخی اعیرس ا قب کرنکزر از نه ریغ کر 
لظن سج 
”اور حضرت| ومو را وکا ا کے رار ووا ⁄ 7 709 ا 
او ہو یں ا کی ڈیٹھ ے پیٹ اور پیٹ سے ھک مرف کر ری ہیں۔ 2 ) 
7ے کروی کل کہ ہرک سے بای طض اگل یرابلا سے راک را تنج گیں۔ 
09 وَعَنْ عَلِيٍ قال قال رَسُزلاللوصلی اللَهعَليهِ ملم ئۇ عبد حى يڑمز ازع يَشْهَدُآن لال اللَهوَآَنَن 
7 رَسُؤل اللە بعتي بِالَحَق ۇۇ بالَْذت وَ ال بَغدالمزذتِ ويون بِالقڈرِ-(رداہ اتر زک واس ج 1 ٣‏ 
پر ےب 27 ار الف وہ راوگ یکس سح کاردوھا ٹن نے ار شیا رفا اک وف بتدہا کسی وق ت کک من یس6 وتاجب کم کہ ویار 
گوں پ ا الت تہ لاے۔ © ابا تک کوک کہ خداکے سواکوئی مو ٹیس ہے۔ © اور بلاشیہ خداکا اب سے تی وا 
ر داش آیاہوں۔ © رت او نے بح میدان نیا سا سحت 
ےپ ایا لاا ”رز ا ور وٹ[ ہب 
٦‏ ار رومام صا دی او ا افو ما a‏ ہو 
جاک ےگی۔ اور اک دنا ج یھ ہے سب ایک دن فا کاٹ اتر جات ےگا کی سے یہ مراد ےک اس پات پر صرت ول سے شنو 
۱ اخظاورکھاجات ۓےکہ مو ت کا ایک دن مقررے اور وہ غراوٹر ےمم سے گی ےکی اریہ عارشہ یا لیف مو ت کا ی سب ب یں ے 
۱ کے وی ار ا ری اہک اباب ہوتے ری ضا انار سو تک فد ہت مر سے جب تک ای کاو تا 
نر ے اورجپ دہ چاہٹاے موت کر دی کرجا پچ 1 ٰ' 
وَعَنِ فن عتا فال وشو الل صلی ال ومام فان من آئین ليس أعافی اطلام تمي 
الم جنڈؤ اريه روَا الْيْزمِذیو َال هَاحَیِلِتٌغَریْبٌ۔ 
ور ترج این ای کک ردام اد لی نے شاو یسام ادف ےی یں یکس کاچ ' 
کی حص تیب ؟ یں ےاوروہ رج دتررے ہیں تر مرگ ےا OP‏ کیا ے او رکا کے ہے مرف ۶ بے" ا 
:ام ای یکرو ”چیہ “کے نام سے مہو ر ے ہے رق اکال کے سال یل اسا بکا ال یس ہے کک یہ کا جک کی 
مل او رش لکی ہت بندوگی ہاب ایی سے تی ےس شع کی تمہت جماواتکی طر کر ری جائے یی ٹس طر کی کککڑی جر روڑہ 
ےک ا کونیس طرف نک د یار کول ہکا کے ود ڑا ما ے۶ ا کو اس گے جانے اور ڑکا سے ہا ےکوی وق ٠‏ 
واتار یں ے پک ووک وانے او رل ڑکا سے وانے کے تی وقدرت مل ے: ای طرع ایک بندو ےک ا کو ےکی کل اور 
کل کول دش اور اختیا ر یں ہے کک و ہج اور سے افتیار ہے قرت اک سے جی ےل ماد کرای چ ووکرت ہے وو ہس یگل 
ازو وکر کیقادرے اورش کی مل ے ارت 1 کی کے اختار لے 
آل ال ایی زوس افرقہ ”رر یو یا IT OST‏ 
ری ال کاو دخ لیس ہے کک دہ خود نے اا کا خی اور اپ افعال شل تخار وقادرسچ۔ ذو جو پاک ارتا چان قر ربت د 
اختازکی نا ےکر تا ےکی کک ”م خزلہ وو روف “کے 7 
کے اھر اپ اچ سک تال ے پٹ ئے ںا لے لہ ازمر کےا تد تک ٣‏ 


طاب رق ہر TS‏ | لإ رال ` ْ 


ان لیا وا تو ںکامطلب یہہوگاکہ جب بنداے اخقیروق رت اود اراددد ینتک کے سے ایت پھر ر کی اورغی زی 
ارادم لوی رع مان ل نکیا اور ل خیاروثررت 1و و یا کے لہ 7گ ماصفات ما ن ۱ 


کوساے رک کر صفات عہدسے الکارکرد اکا توق رقی طور زس اتا یڑ ے کہ دو سزدشدہافحال خودبندہ کے سکہلاۓے ۲ ) 


) ای گے بک ا ن کو تزا کے اقوا ل کہا جات گاشواوودش کسی کاہوار ری ھی و ہے صادرہواہو لیذ اجب بندود کے کا تو ہا جا ےگ ' 
۱ کو کی وھ رپاہے بک دا دک راہ جب بن ددکھا کے گا راتائ ےکک وو نی ںکھا ڑے فدہ جب دنن گا تو لی مکنا وکاک ره 
کک را ےط دا کن رہاے: بن دہ چپ سوک ےکا اوی ایا کا ا وہ جس سورہاے اہ دا سور ما ہے لوویانددے ول و 
جب سرد ہکا تن یکنا ہکا ا کے وہای تد ے؟ یس کل و رتقیقت قرا ے و ار ر و ا ارا ی ) 
سے ناف کے رجور ہو ےکا چا ے توغلام یہ ےک بندہاگرجہ موجوو ے لیکن قیقت شل ا کول وجو ر یں ےکلہ وہ 
غا اور افعال کے وران اک یرای سج ان فال کے ہا کے لے واس حر ےہ موھد رف فز ای ذات ے 
درد کد ہے۔ ) 
لزا سار جت وعدۃ ود ارت موجوزاکا ی ن ا و جا ےگ سک ل پال سونو کی مان ن ہہ ) 
او ہت کی ہیں مس بحاص لکت موجودات اور ایا نطاب تکابر لا انکار اورسا رک کو ںکو ایک قوی اور یکا رغانہتصو رک لین 
یل انچ اور ابت ہو جاتا ت کو ا اک ات میں م 2 چرم وجورم وکر الحرم اورمیروم الے؛ مور رف زات داع نات 
او ہگوی کت ا یہ اصطلائی الفاط مس یہ ےک دائرہوجودل وجوی مرف ایک یلو رہ جائے سے داجب الوجو ر کے ہیں اور 
کن اخ کوٹ نتان وج تی نہر سے بہ وہ خوش کے لے مور 8 تح روما 
اب تار ے کہ ابی ف را ول رک پافضان جور جے کے ہیں کن ی وا ےا س کہ ایا تیو ل وجودکی صلاحیت ے 
لین جوکلہ وی مور و 1 نس کے ےل پ رآخاروچود اورا Etî‏ یں ہو کت ؛تواپ ایکاو کک واد اور ین ل چ 


گل سآ زایا ر کے بحر اپقاء اون دا نی نر تصرف اور رایت و فیرواڑسی دو قرام سنا ت کن جن نعل مخلوق سے راس ٌَ 


ردان ہو ؟ اد رکہاں ای شبات دکھلائی ںگی؟ ج بکہ زات مد وندی کے سواسی غی رکا ای نہ وو لن صفاتکاموردو مین 
زا مس انا ےکک ا اک رم مقت اال اعت ہیں ںاور فل کرم کی وعدم ۱ 
رور ا وی افال بارقیکاعدم سے جو اتپا ی ے۔ ۱ ۱ 

او رت بک یہ ی فو الات صفات وچو و کے آثارے جوزات ایت یہو کے تو باشب وجورغداوئری ا نکی ی ے: تس غر 
اورغراک سے رت ےی لت ا ر اکل ا نپ ووی کا کارغا تام تھا رس 
تس سنات او رشن انال کے ساتھ ناک یس ہک تو سی نا ذا تکوخدا کے کے می ہے لک اکہ نہ ال رم اورت 

لو ری ۱ 
) ودک کہ رج رات ےک کیرک اور تتا ر تو کیا ار کے تام الو اال کیک ری تی ای 
کے مسرڈال دی E‏ اکال انہوں نے بتدہ کے انتا وق رت کا اکا کیا ا تو انیا کار راک صفات افعال یار ترف اور 
بویت ون یړو کرو ےا کد ارا 

اب ذدا ”رہہ کے سک کک چ ask ta‏ 
ْ اسیا گت مرکا اورصفات موو ے مر نظ رک رل یی بن دہ کے اختیارت وٹ ررت٭ ازارہ مطیت او رل وگ لکو اس وزج شش اور ۱ 
سسسسس سس س ناد ست سیت 


خاری ہے ۲ سط E‏ جلد ال 


کے ال کال گاہس رتت ہے جب نوا ےکرلتا کو اتل انتا رکم کد فراش ارہ ہے نہ رہ 
اقار ےہ مین کک ا مز جر ٰ 

ازام ری ےآ ے سے شا صفات خائ ارارک تیار وغھ وکخداسے وال کر ےن ےکو ان ےکور اانا 
. اورک ررے ےا صفا گریئر و سے سواہ کے خد اگ ان ےغال ان لیا  .‏ . 

ور ےا بس کی می وی (ْہوز پاش يرمش ضزوض ر زات یروت فان و ی اک 
زی لاد اکس کہ اک ہا ت توظاہر کے یرہ منٹ بھی سپتنگڑوں ہے برے افحعال او ر رات و کات اف ائ رازو لہ ےکر 
رح ےس کے ر کے ایال دح رکا یک شی لکن ہے پچ انرا تحص فا تک عددد ای ما م تک نہیں ہیں ایس کش 
کے ای یں نی انان سک شیا ہکا کول نا ہے ظا ہراشا ای جو سے" کی دکھرذ دنا 
1 ران ن سے ےک رآ ھان کے ہا ری ی محلوقات ربقل لا 

یز اسمارے انمانوں کے یہ تام افعالل جو سمارے جی عالموں من یہو سے ہیں او رقول قدد یہ انسانو کی مخلوقات میں جن ' 
کی ییاو تلق یں را کا لتوکراہ لاہ ال کات زرل کاچ اورک اے انی پرا سے لا کی ےکوی 
ضا جر یش بے یس سے جھےتود کیک را کرتے وکت جات کرس ےکیا اورک اکن روز 
اللہ مزا اتمابے ہر اور لا کے سی بھی خر ریس مون کاو نکیا ڑب پر اواو رکون ہا شلب داورو" ) 

ال وریت مل لقن را نکی کس کنارف رھک وتات کے شار ےھ جا ےگا کی مل کہ خدا تو اتبا نکی گے اور انان 
تام افعال و اشیاء ٤غا‏ ے اور ٹاہ ر ےک انبا نکی ہی سے ال ن کا اٹعائل بلا شی دک روڑو یگنائزیادہ ہیں ال لے ل ار 
نای وتات خی اکی وتات ے زیادەض ہو جائے او ری لوچا ر کی وی کہ خدائی مرم ر سے کل ارج 00 
لہ a‏ ینہ ہوبں یس اش ما س کنا سے ال خر و ا م رگا اور ائ ان عا رکلم وکیا بندہتدط اڈ رورش لیا اور غیدا 
دو ںکی فی شای جا ڑا ایند وکازو رتو خداکی خرائی م چا با کہ ای ے اتال و اشام ل اقا ت کر ڑا او زج را کا زی خ را 
انرک اسے ان مخلوقات کے وجرد یک نے با لم بھی تہ ہوسا ورای عقام یکر الک راوه ترت مت اور شیا وق 
سس ےکار او رل مور ر کت قرزا زم زر مسو تیم الوسلام راان ر لیپ صاحپبرظل) ۱ 

یہ ےا وولو ں فرقوں کے مسا کی مقیقت اور ال کا اشمام ظا جر ےک یہ دوفو ںآ رے ابی اتی جد اسلا کنو ہے نہ مرف 
گے ھر اتال سے پٹ ہوئے ہیں یک گر کی طرف بے ہوئے از کا تچ ماب قداونااد نر رت کے بلا 
اور کی یں ہے ۱ ۱ 

ا یں کے ام ال شت و لماعت کاسک پک صاف ادج ہے علاء کت ہ کہ وق 
خد اوت ر ٹرول ے او رکا سپ تردے۔ ی داجس ی یں وو ےہول یں یہو ئے وای a‏ با کی کےا رآوہو 
م سے ہہوکی خیں؛ کی رح بندوں نے جو بک افحال رزو ہوتے یں خواہ دداقحال نیک ہوں یا افال پر سب ویر قز کے مطالق 
برو قت و وراز یہو ہے 2 ند ۴۴ ا 1 و ست او ریک ورش اسا زر اکر لٹ ےکی صلا حت عطاقر ار ین کس رت 
دلول را وا کر گے گی اور ہا بھی اعلا ن کی کرد ماک اکر کے اخنیا کرو کے توسعارت ونیک سے 
اے چا اور کر ال ویر کے راکو اتی کرو کڈ اب فاون رک لگا کے چاو گل ادا باب سب کے 
اخبار ےا ر رلو یں کے 

کیل نر ات کوک رقت ار بھی کت کا آور کور کر ودرا کے دک م یہ 


00020 ۸ | جلداولی 


ور وی یف رف سے اسے خقاما نکر زیر سے پابت کے یں درد درک طرف اسے و رک کر انث ہچھرکی رح 
یں کی تل یں کے | 
بہ ھال اکس مر یٹ سے زلا م رلوم ہوا ے کیردونوں فرے تھی مر اوزق در کافریں ین م نضرت 7 گبھر! ل مخزث وبلوی کی 
ن کے مطان علاءکاقول تار ہے ےک یہ دووں فر ےکا ری ںات فا سن ں کیو کہ یہ ےکی ران ومر یٹک سے تک 
۲ کرتے یں اور ا پت رات ل تاو ل وٹ کر ےےکفرکے دار سے اپ ےآ پک چا سے بنا ا حدیث کے باروش کہا جا ےکا 
کیاکی سے ا فقو لیا جروعامت ھور ے اور ان کے نماط ار 7 ای اوو کے 092 سہت- اھ الع کے 
یرجہ بکاررکیاحار ا ےش خر ت ےا مدیشک یں کیک مک ے۔ ٰ 
رت اک fs‏ ان اس کے بر قاف ےو نے ور تین ةل کنا ما اور یر عو 1 [" 
اال کن شل اشطلاف ےک ا کف ا رادی۔ 
09 زع انی غمرکن صوغت سول لوی لعل تفر کون ف اتی خشف وَمسَغ يك فی 
النْكَلَييَِبِالْقَذر-رَوَۂألژداؤدَوَرزی اليْزمِفِیُ تو4 ' ۱ 
"اور تضرف اہن گر کے ہی ںکہ یل نے مرو زکائمات ê‏ کویے ڈرائے ہوئے سناسے کیہ ری اھت یں رغ دا کے درد اک وزاب ) 
رمن ںا انیس جانا اور ضو رتو ںا جانا جا ہدک ادر زاپ ان لکول رکاج کے ہیں( ادا اا کے سی 25 
کی روات لکیے۔“ ۱ ۱ 
شرع :زین یڈٹس جانا اور صو رتو ں کا ہو جا ناد اتا کی باشب سے بہت کت زاب ڑل جو ال أشت سے پل رو ری ستول پہ 
الت کی ا نریادہ ناف سای یی نا پرہو کے Cr‏ اٹ بل * 1H‏ تترژمانہ یں مرا ہے رور مشیر بقاوت ت ونافرا یعرے 
زمادوڑھ جا ےک و ان فرتوں ہے عزاب ہو ساےہ 
کان بس حر اٹ ت کت ہیں و ات یت 21 ار وشف کے ررر اک ذاب مو امت پ ہے ان 
دوأول قرول ہوں کے ) 
رن ردرن ڭېم ڭى خی تاقنر ۈش خیب انز فا تزۇزخچۇن ماز 
فانَنْھدُو ب روه اتر والرداڈد) 
. اور تحضر ا٢ن‏ گر راو کے ہی ںکہ رکا دو نام نا 0 ےکر ا ریاس ترا ۱ 
۱ کیاعیادرت کے لے نہ جا اور اگوہ ھر ای کو انا کے چنا ہش شک مت ہونا۔ ' )ار ٭الوواؤر ) 
تع :و صر یٹ سے ترد کی گر اتی او رانک شلات دا کا نکو الا تک مو قرا ریئو ای شس ست _ 
ےو مم کے بو رورا : سےا اب ووخرا 7 کو لای کار رار ےوالاے! رو نرا لے 00ر اود ابر الور کک دا راکرس 
والاے ا کو ا کن فیا نے ہیں۔ ۱ 
اخ طح رک تد ال ےکی یں اک طرق ےکی اناف یں کےا انی کان ک نویک :نے 
اغا کا خا لی سے ای رح جن بندرے وس گے اسم یھی نال می ہوں گے ر ترس طرق ررے فال خی الک اور فاا شر بے 
ہس اک طخ تر ریہ کی کے ہی کہ خرو بعلا کاپ :کے و الا توغ اچ اورشردبرائ یکا داکرتے والاشیطان اور انا ہے۔ 
ا دیش ے لو ہوک کاو ال رڈ ےکی چا بکرنا دک کم بات 4 


000--۰ ۳۹۰ | یل : 
یں جانا جا ےگوہ رای تو ان کے تازوش شر ہاو ریا اھ اردان ۱ 
کے سا تام اشرق کل ول لے : 
چاو رات جو باص یں کے زوش دا لکرتے بل ریک ابچ تاز کول ارتا شن ۱ 
مسلرانو لکو ان کے سا یل جول رکنے سے کرتے ہیں۔ 
او رتو ضر ات ال لو کاٹ 2ھ کے ہیں وہ اک میٹ اوا کے مس کرای دیقم ال اکر اد 
۱ ہلال تاوا نک رتا اور ا نک زج رول مت میں شید ت کا اما رازناے۔ 
لن رت شاو کر ایال دق نرا ہیں کہ او کہ د اک ارت مھ اوران ناش 
۱ شمریک مو ادرچماں تک ہو کے ان ے 4 انر - 
. وشن قان قان رَسُرْل اللصَلّی اللُعَلَیموَسَلمْلاَتَُالِدُو هل ادرو لازم ۱رر راون 
٦‏ اورحضرت راو ہیں اکر ول اللہ سر سے رشاو ریدق ری ۴ نیا ختیار کرد او رجہ الگ پالم( )الف )ہا2-' 
۱ (ااہراژر) 
ےئ کے کن سے لن اور ا نکی م نی اتارک نا نوع قرارد یکاہ ے انس کیہ لن کے اتی اشن 
ھن اور نکی کرو ی شل شیک ہونے سے یہ اہرآ ان سے گنت موات ہے اوریہمسفراقوں کے سے ماس ب کی ہ ےک ۰ 


۱ یکر داعت ے کان واک ری اور ان سے انس دحتا اوی 


ےک جب ال کے اھ رما ہام زگ اور ا ناکم ٹیا کی جا ےون ےرت ت اد رگمراداعلقارا تکا اٹ ان 
اک کے والوں پر کک اور ا کک یی رال شس کے اعنقادد اکال بھی اٹ اندائرہذگی۔اورہوسکا ےکوی ییا کرو فرب یں ) 
) گر ا کے اشنا تکو لی رے؛ سأ نیل طور ر ان ہلت رمواضتدے فیا اکیاے۔ ٰ ۱ 
۱ اکا رح مد یٹ سے یک ظاہ رہ اک دالو ںکو جا ےک دہ اٹ ےکی ازع می اا تر کو ھام د نہ ای او رنہ ا نکو انا شالت 
مقر رک رم ا وم کے نض حضرات ہے گیا نکرتے کہا کامطاب یہ کہ لن وکود پچ لام کرد ورن ازخود ان 
ے ات ست رو روت واا ۔ 
9 وَعنغابشةفالت قان رشن شزن الله صلی الله عایه وسلم ةلهم وتم الله وکل نبي جاب لفن 
کاب الله الْنْكْذِبْ بِقَذر الله لْمْتَسلَظبالْجَبَززْتِلیِْزمَن آذلاللةر رهن عر الةو الف لحل لحرم الله 
) معز من عِترتی مَاخَرَم الله انار ك تى روَا یی فى مدع وززب في تابه | لرن 
) اور ضرت بان صر شف ای تی کے سار روا : ور کے ار شمادفر مایا تچ نے سی جن رس سی چیخاہوں اور خر نے * سی 
۱ ا نک حون رار ویاچ اودر رک کی رعا تول ہنی ج( تاب اٹم زی یکرنے ذالازدد سرد ال یکو تتلا وال دہ 
تخس زر E‏ سس کو مین یائے سکو ال نے ین لک رکھاہو اور ال بس وزع یکر ے سک انف قھالی نے _ 
عونت عنم تک رولت سے آواز رکا ہو( تو تھا )ووش جو(جدوداللہ سے ہاو گے 1 انج کال چا کے سے الد نے کرام کیا ہو۔ 
۲ وا اہ جو یری ادلاد سے وہ جز ی اعلا جانے جو لے 7ری جاو ادس چو ری تک وزو سے 
( نیم رزین') 


سش0 ریغ ایاپ رر مالک یریت وک سد 


مظاہ رب درم مر کے ٰ لد ای 
ا گا پوت مسج وش بر تہ[ 
ورک 7 و سر آپ پچ سے سوا لکیہ وکا ال ہآپ یں ان ‌لوگوں ‏ لعل تکوں کے ہیں ہکوری۔ 
آبپ ای نے توا ب و اک چوک خداود دک نے ا نکو اپ اکا لکا نا حو ن رر دیا ای لے اکا کے ہی کہ سول ۱ 
۱ یا الحو ن تار رے اور اہر ےی کے لدان مق ری نے نکی مول بردم اور جریددعاہاب ولیت تک کک ہتی ہے ہی لے جس 
000 انت ہیں ا سکیا دنا ابر باد وارد شی تہ ہو جا ےکا كط( فل جا بک /اغاروییا 

ےے-۔ : 
کو وای وریث لآ فیک وت شی فی مر طص اس ہے نان 
ٰ تھے شون آرار ریا جار ہے وہ قرآن ٹل نیا ادگ کر سے والا ہے؛ شون وہ قرآن شش الفا کیاد کے اک ہوں کے٤‏ )مے “يان 
کرے ویپ ال کے نہوم کے غاف اورشا مایا و ت 

تیم وس وہ سے جوزیر رک غاب لکرے اور اہک شان وخوکت کے نل پوت ان لوگوں کو حو زار سے جود کی ظرواں 
یڈیل ہیں اور ان لوگو ںکوڈی کر سے جو کے ہاں ڈرام ریہ رک ہیں ا اس ین ر ےق سے مرود ای ے با شاواوز ام عاکم یں ٤‏ 
جو ات اخ را رئش وق کی بنا کوت وروت کے نش ری فر نے ون صا ونیک بندوں او رملماتوں ا 2 77 ھ7 
E AN SLE‏ اکرش ڑل 


ا کنو رور ےی زک 7ے ان و تیصو بد 00 ٠‏ 
خلابیت ان کہ می جن اتو ںکوخدانے ممنوح قزار وی سے جی کی جازورکاشگارکرن؛ رر خت ونی وکا ای اجر انم کے کے مس دافل ٠‏ 
ہوناہ ا کو وجفال متا ہو | لے بی سربار رر ی چپ کی اولاد کے ارہ می مجن چو ںکو ضرا کے مرا مکی ہے ا کو ہلا کرجا ہوم ۱ 
0 وپ رکا کولس گر بارا ا نکو کیپ اترام قرارد اگ یاہے ا نک لیف 
کول ہا ترت رای یات ای 

ہر سے سیا رسس ODE‏ اھر نظ | 
ریات اک رح ائ لکامتضیرنسیدو ںکو ت کرنا ےک ی لوک رار دوعا م ولا ںہو کے ا ے کاو وحصت سے چ 
۱ مر رر سی وتاک کا ت یک ھت 
آحضرت نات سے ے۔ 

ای رع وان ون دش تروک چچ ان چژول ک ررر متا تھے لٹ تال حا لکیاہو۔ 

اعون ا کی شض کوفرا رد اگیا شت ہو یلو رک 00 0+49 ) 

”راب بر ۵727۸22۵200000 0 ظ1 7ا 
چھوڑتا ہو کافر ےلین اس اعت می ذو ول شریک ہیں ۔ کہا جا ےکک جص از اہ سل کسی شتت چو ڑے ہس براضت 
کازج رتو کے لے او جس 3افت ھک ر شور رتا ا پر N‏ ںہ کوک سیا وج ے 
ا کا ا وکا ن بی متاس ` 

مضرت شا ادخ اکن و ہو فرمانے؟ کے وعید شش موک روک تر گکرنے پس 

E E‏ مرک رر سز 


تار ٰ ۱ 4 راق ) 
8 إا حا رہام و اروگ . ۱ ۲ ۱ 
”اور شرت مل بن مک راو ل ٢ل‏ 02 م س7 رت کو کنیٹ مقد کرجا 
سے کو1 سس زم نکی رفا سکیا عاج تکو کور کردا تک رد ہل جانے پہ بوجو اوروہاں جا اکر مو تکاشگارہو- ' ا . 
۴2 وَعن عَيشَةَلقُلت ارول الله رائ لومي َل من ابَايهۂِقَُلتُيارَسُزنِاللَهبلاِعَمَإِقنَاَللَه 
َْلمْبِمَا کا اعَامِِیْن قلت فد زاب الْمْشر رهن قانَمن اهيقلت يلاعمل قا الابما کَالُوَاغَاِعَ۔ 
(ردا:|لراژر) 
”اور حضرت عا رل i iS‏ ار حول انل ( چات ددوزغ کے اا مھ لان 
بو کیام سے" آپ نے راردا ہے بالویں کے اع ہیں شی وہ اس بل یں کے ساتھ جقت شک ہیں “میں نے عون شکیا با سول ایر یر ۱ 
یا ےپ A‏ نے فی اللہ تیال خوب چان کہ دوس جو ہکرس دانے کے :لاس راو یا ھا امش کو لاک اولار ۱ 
rL‏ اپ 8 نے رای وہ بجی اپنے الہ ں کے جالع ہیں۔ یس نے( تچ ے )ھا یری لے ؟آپ نے نرا 
راک جانا ہے دہ جوا ۴ وکرے وا لے کے (الوداڈد)ً ) 
) شس :ضرت اش صر کا خشاء ال مو وناور مر وس ےرم ملومگر ارما یں اک وا ےکوی کے 
تھے او رن ےکوی ل ترا یر صا در یں ہواتھا۔ ْ 
سرکارددعام جات کے جاب کے اع ری ھاش کو تب+واک لان یف یگل ے شت ر کس مر ال مدکی 
ان2 احفر کک سے واللَهاعلمیما کانواعاعلین (“ خداخوب جانا ےک و کا لکر نے رانے تج )کک رقاوقرر - 
) کی طرف اشار زایا اک ود جو ہش کر وا لے کے وہ وشن تز رش فو ہو کا ے؟ ہگ و ای وتا انل ان ے ئن یں 3 
بے یں 27171 7 گل ود زن یک وات کر ےو دخا کے عم یں ہوں ےا ا کاو لے گرو ) 
شرل کول کے بارے لاعلا تور ہے ںنکہ یال رار وویم 4 کے جوا کامطلب ہے س ےکے ووائی اتے 
الا ے٣‏ خر تال خداک چرچ وروک چاتا کہ بال ان کے مات اہک ای لے ان برو 
نے سا ت ںاہ سکنا۔ ) 
2 وَعنابنمَشىۇدقان سول الله صلی اللَةْعَلييَسَنمَالَرابِدُرَلمزْهزِدڈُفی ار (ردا ايداف ْ 
”اور ضرت این و ر روات امہ سرکارروعا ال علیہ کا کے وای( کورت) اوروہ ي E‏ 
0709 ا (at)‏ ۱ 
کشر م ریا المت ررم بول 7 5 اکر دس ےکادروںاک طروت ای تا 2 خصو 7 تو پداہوتےی موں کے انر 
اک ر ادا جات تھاجب اسلا مکی مز رشن عم تم لکی تام تاریو ںکودو رک یتوہ طیراضسانی طروت کی کرو گیا اس 
کے بے لے میٹ ر یار تاور نرد ولا اود کرد سے ولون کردوز ی آراردےرکاے۔ 
کا ڑے وا ی* N EAE NDS PEE‏ 
و ورت ے' ا جاے نا یکا جس سے ےا 93 اوران ند نک اگیاہوں ۱ 
ا سے مادک گی ہے کوک ڑ ایا ےک کل رع ا کے دال ریت دوگ یں اک طرح جب دہ“ یمم 


"ھ2 اکا ا و دہ ئ کے سال ونم خلرف ے۔ ۱ 


ہز ٠‏ 1 ت ار ول 
) دنا سے NIT‏ 1 کے ید ساد سی مس جو یں ای ا 


ہا چ وداپے اپ تاچ 
ك0 افَضلْ الف ٠‏ 
9 عغن آبی الذَزدَآء قان قان ر شو الله تی الله علیہ مل لل زول رع لیک غب ين هه مز 
حفس هن أَجَلم و عله رَحَسجَوؤاٹرووَرزقہ جرد 
”اور حشرت الوررداء راوگ ہی کے سرکار دو عام تا 7-7 
کار کیا () ا کی موت وک کم ؟ ا کی سر سر 
کہ اور ا ۶ی سو 
2 :راان سرا ےکی بہت لے ازال لی کی کے قورش پا 7 ی شا بک ت کے ٣‏ 
اورت یکو 7 وتال ل کے رض نکی زمر یککھاہوڑتا ےک نکی مکی ہے اورمو تک بآ ےکی اب جووقت اور 
چول موت کا کے دا اس یل ایک یناور اک لی بھی زیم ون خی یں ہو لکیہ اک طح انان کے یک و بد اعال؟ کیک 
پرا سے ےی وش ر ہو کے ہوتے ہیں کال سے اکال کے صادرہوں ہوں کے بت نی اقا لآ ہے گے یں وو ینا 
صمادرہوں ےار لے راا لککھ نے گے الہ گا سوقت پ یں زر ہوں گے۔ 
مان قا مک کہ اور ای کے کات ولات اتام کک یکل ےشن ہو کا وتاس ےکن او کی خی کی کاوجود ) 
وقام ہوا او ری رو ےنپ ا ںکیازن رک ےا الد ایال صاورہوں گے انا ن کا رز پیا ا سںکینوشتہ نز بر ےطان ی حت ) 
۱ یآ ہے جس کے مقر رش جتنا او ر سس مکارز کے دیاکیاے وہ ضرور ول تک ےک اگ رتھوڑددی رز قلا ےتک ی لے گا اور ۱ 
۱ زی ارم کے وکا ے7 ے لوا یاد ےک ۱ اضر اکر رس کے مقدریی طلا رز تیکھاکیا ےقوودعلال رز کات ےگا اور اگ ر١‏ م رز لے 
۰ دا ےتودہترام رز قکوا ےگا یارزقی ے مرا اڑے ےک بد وا نرک مجر وھ ا دآسانیاں اورراحت دآرام ے کچ 7 
لے ہیں سب اک ترم س پیل آل سے کے ہیں۔ ھک 
9 رغ ايك سہنٹ رد فلخل لە عله وزز ئ کی كی, من رشنل عله 
يَمالْقَيامةرمَن کلم فو لم يتل عن رر ساد . 
”اور رت مال یٹ فباکی ہی کہ ہی نے سر ومام کوزز مۓ :جب میق رط شفبدل٤۔‏ ) 
اتا A,‏ اا ا کی )شا موی اشا رگاروا سی رازہ سے پل جا ک گا "می اج 4 ْ 
رع :اس دی ٹکامتصدنظز بر کے ستل می ور گر او رقن ونس سے کر نا ےک حداکے اس را شل جوہند ول مار گرا 7 
۱ ی کت غد اورک ہے زیادہ بت و باح ھکر نا یا یف٠‏ کی چو یکا آرت ےک کارا رش ہے بک اس ست سکیس مک 
۱ فو وکس خرن آخرتاوزقامت بن کاچ ال ادمات اکا چک دیپ انا 
ھا اور تامو راتا رر ا مروف رے۔ : ۱ 
لہ آپ کا نام غور ے کن وس میس ہہت اشتطلاف ہے لص نے ا سے پل نام مار اہن مالک ے اور موی راپ کین ےا کچ اراو سے شر 
ا شرت خان سرت مالل خم ایپ کی دات ل 5 9 


قور لیا کلپ قاقد وع فى تفن ُنی: ون قحلي َل ةن ۱ 

ى۷۹ اله اَل اض لهم وهو غير كالم َم رجهم گات 
تھا حا هن نموم القت فلحو تَختافی ريل الذيعاقيلة يئك حلي تمن بالقذر ۲ غلم ان 

۲ ا اَضاكَم کر خوك ماك َمْيَكن يِج ك وَلَومَتٌ على يرهد حلت الازقال لات 


٦‏ کے حر 


عبد َالْلَهِیْنْ مَنْعوِفقانَ مٹل ذلك قال : مات حذيفةَن امان قان بقل ذلك نْب رَد : بچ فخت 
0 عن الب صلی اللةطلي دَِسَلم ول ذل (روادامر وااوداڈروا ہن ۲ج 8 


- او رشت این می اشن رد سم رب اید 


ا ٹس تھے کے بار کی بکتھ شبات پا ہو رے ہیں رک جب قرام جچزن نوہ تیر کے مطالل مؤ ںت ویر کواب یاعز ا بکیسا۴) اس لے ۔ 

) آ پولا ضیف پان کاک زا یکی وج ے )شا ا تحال میرے ولک اس شیہ کرک سے پا کے (یہ نکر انہوں 
نے فریایا اکر اللہ تھا آسعئن والوں اور رشن والو ںکو زاب شی ملا کر ےلو وہ ان کی طر ح کا کے وال یس ے رن ددائل 
۰ ناور ال آسانکتائی یزاب دہے سے بط کا ھاس )اود ار راکو ایی رشت ہے وا در ےتو ا یکرت ان ے 
اتال سے بتر موی او رارم فد اک رامل اھچا کے رار سو ہنخر یکر و ت ہار ایل یف کروی ا یوقت تک قول ہیں 
چب ت کک م نیپ ےکا اناد ایران نہ رکھو ادر ہب اوک جو پک مکد ٹاہ دہ( ر کے ) اور خاک ر کے واا تیاو رجو چز رک٠‏ 
و ہیں یس سک یتوھ وک )دہ تمہارے مقر رش 3-2 اوھ 2 مس حعالت ان م چا کہ ا کے فلاف شروو(“ شري ` 
کل ا یات اوروز مس ہے ان رک کت ہی ںکہ ایب کب کیہ بین ناک کہ رائ ی سحو نکی رمت شل مار 

بدا اود اہو ں نے گی کک جیا ن کاچ رف زین جن یمان کے پا نگ اتد ا نہوں نے بھی یگ کہا اد چرس زرم امت کے پا ی جا نہوں 

ا ایی ور سول ال Ê‏ سے روای ت کیا ام” ااا :- 

کو :مرت کے الفاظ اَمااَصابك ناخ لق اکا مطلبے ہے ی ر ا و ) 
کیا سے می نے ا یا 71 نے ما کاے اور ا اک کوئی پر ہیں نآو م و اکر کر وم اورچد وج دک رجا آ ورور ہے 
کت حاصک لک ر لہا یں کک جو تم تک بنا ال ٹس تہارک کی وش کو دخ ل ٹیس ہیک وہل شعن یر ےطان کٹا ہے ادر 2 
یس یں گی دہ چوکہ جار تارے مقد می کی یں لے دو ہار کین سے یی کی کی سے ان لجا ےک 
کی جیا کی ہونا او رنہ ناتاس ب تفز ای کے مطااتی ہسے۔ 
0 © رع افع ارجا آتی ابن عم رفقان فا بئرأحَليك السام قان بین لخدت فان کان قد 

. أَخْدكَفَلتْفرَلة بی اشام فانی سيعت رَسُزل الله صلی اللدعلَورَسَلمنَقُولَکُزن فی ایی آزف هذ الم 
: خشف قنخ از ذف فة اَهَل رَو او وَايُوداوذ ان اة قال رهی هذا حَدِیْتٌ حَسَنٌ 

ضجیخغر 0 ْ 
ر ”اور مضرت اح ا یازوایت کہ 2 ٹس صقرت این ر 90 کہ فو ں ےآ پک سدم ا ) 
۱ فرت ون ھڑ سے رای کے معام پک الآ غر )و بات الد گر دا بے دی رن قبتچدا 
٣‏ نہ حفرت این وی را علیہ ای ہیں ری شواک بن قزر یھی ے آ پکا شا من ےم نین می ہت ےن 


س سرت اف ج نکحپ الصارکی و زیی ہی نیت شڈ ےچ جو سرکاد رومام ê‏ نے پک ات ان کد فت مد ' 
سے شرت تا جع ر دس مت اتال اراج ۱ 


امن مدر ا _ ےم ۳ا ۱ و ۶ ۱ جر ال 
کی ستو ری طرف سے (جواب می) اسے سلام د اھا وی چا کے فریاتے ہوئے اک میرک 
اھت شل سے پایہ فرایا کہ اس اٹ ال سے (قداکے ور رتاک عفر اب زرشکن یل نس چان اور مورت کاخ وما اکا رک امل قر 
) وع کاا کا رک ےو الول )چوا( ریز الوداؤو ٤‏ ا٥ین‏ اچ ۹اد ابام ری را ان ےرت سن وریپ ے۔“ 
تح نے وانے لے حطر ابی ر یک جس انیم ایا تھا اس کے پاروش حقرت ہین گ کو معلوم ہواہ وکا کہا نے 
۱ ْ نی طرف سے دن شس ی اس کی یں ن وق کا اکا رک راچ زا ححفرت این گر نے رای کا کی کے ملام کے جوا مرا 
) لام اک تنگ نہ بیان اوت میں اس با تک یکا ےک بھم وی لوکوں سے سلام کلام مکی رصان سے اقات ا ری جو 
اښ اہول اور دا مد اکے رسو لک کی ہوی ہودددسے ٹاو زک رےہوں۔ ) 
ْ چا علیام اعا شکنایرا کرابا ت کا اھ رگا ہی سک نا سس ون ترو از گیٹ کے سلا اواب وداب بیس ےکا تی 
می لاور ہن کے سا تھ محا نکی یہ کے لئے ہا یئ ان ےرک مات وت ت یھی مانرے۔ ۱ ۱ 
O‏ عن َل َال سالب د : َة القوي صلی الله عله وَسَام عَنْوَلدينٍ اناا فى موقا رسو الله 
) صلی الل علو ولم شتا فی اکر قان لا ری اکر فی و قان لزر ات کاتھمالاً طبهم قات ب 
۲ رسُژل الله فوَلدِئ منك قَالَ ‏ فی اجو قال رز للَوصّلی اللهُعَلَيْه وسل ا الم مت يِن وًاؤلاَهم فى الجن 
ول مودخم فی ور رسؤن اللِصَلی اللهُغلَیووَسَلمؤ 020 ْ 
. (رد:۱ص) 
اور ترت 7 گرم ان وہہ راو آل اک رت خ رجہ ےس رکا رووا E‏ سے ات رولوں ہیں ےر رل لپ اجوز ہاتہ عالیت 
ل 1ل ے سل سا تھے زا وہ نشی یا پا ادوزگاا سرکار دوعا E‏ نے را ل 7 رولرں )دوز ۴- یں نضرت د 
ہے یں کے ج بآ آحضرت ا نے حضرت ف چ کے چ وک رتکف(انے چو کے روش ے م لرا موا زیا کور یرہ رات 
.۱ رای ان یں کے کے اور ا ن کاعال وکوک ووی رع خد لک ککوں )ےرت ہو چاسے ؛ کر 
جخرت خرچ نے خر کیا یا ر سول اڈ آ اچھامیرکی ود ادلا رج وآپ ا سے یادا( اور براش ” آپ لے رای “وہ ّث 
ٹس :ال کے بعر آنحضرت 29 نے را لد مو کن اور نادلا جت ل ہل اور شر نک واارروز رغ شش تل۰ کی کے بج 
آپ نے بی آیت تلاوت نرا و انامز او الهم درم امان الفا رتهم اف را( رہ “جولو | ان 
لاور ان کی ادلاد سے ان گیا طاعت کی ڑا ران کاو رکاش شم کے ات حر Cen"‏ 
| 0 ت ان مزال فَالَرَسُزل اللہ صلی الله لووسم الق ددم تسح هرسف مور 7 
وال هام ذز إلى ؤم اة وَل بين غیت کل اسان منهم یضاق رك َرضهُع على اذم 
۱ 7 هُولاءفقال رَبك رارجلا لعجب یی ما این عي عبتو قان ای رب من هذا قان اوذ 
۱ ل نرت کو جت درا فرع مارب زین خرن از قز ردول صل اغا 
ا القضطی غُخڑ امم إل امن جَآء٥‏ مك الْمَتِ فَفَان ادم الم ق من عُمری آزبغؤن صَنة قال الم 
١‏ عْطِهَا اك اود فُجَحْد اَم فََحَدَ ت ذُزة وسن ا َال می سريت ذُرَكَة وَعَظأَادَم وَعَظأتْ ا 
ک ام و عت خی کو تو اھ تا جا یہ بت خو ی ود یں سر ہوا ول یہ ری ب ےکی نہ یں 
حشرت فر کا سب سے ا زک رف ے کہ آپ تام سمکو پت پک ھ٣89‏ شن سال یی 
کہ رم رمضائن کے مہینہ شی ۵ا نمال کی ری ہوا۔ 


ا 


ره (رو ہت ری ا 
"اور محضرت اوی رر راوگ ہج کے سرکار ددجال می اللہ لے وحم نے ارشارقہای جب اٹ تیان ےآ وم عل الام کو سز اک یتو انی 
پیٹ یر اھ برا(“ نی فرش کو ماھت کے کا ام انان ا کیک سے دہ تام اٹل کل شی جر نک وآوم علیہ السلا مکی ا ولا یل اللہ 
تما ات تک یراک ر ہے والاتھا اور ان کی سے ہر یک تن سی دونوں آگھوں کے وریا ن ٹورک چک 7 کچھ ران سس فکوآزم علیہ 
السلا کے ویر کزان سب و 11 رکسآ وح علیہ السلام نے اپ چھاہپروردگارا: پیر ےون ناں؟ پور گار ےآرایا ا ہے سب مارک اولاد یا 
وم علیہ السلام نے ان می سے ای نشی کو رکا شس یکی گھوں کے رر فیا ن غ رول چک ا نکویہ کیک ریک اودر گرا 
ت کون ہے ؟ رای" ے دازرعلے اللام ہیں ۔آدم لالسلا نے عم کیا میرے پ ور دگار| تونے ا نکی ن تر ر ے؟ قرا ”اھ 
بر “ترت آو م علیہ الملا م نے عوت کیا ہے پرور گار ا کی رن یری ہے یس سرال زیا دک رد ہے راو ک کی ہی ںکہ 
۱ راد دوعا پا نے قرا چب حضر تآ دس علیہ اللا مکی میں چالیس سال کرو کے ترمو ت افش ان کے پا آیا صر آرم 
ای کہا کیا شی ری عرمیں پان سال باقی فیس ہیں پلک الوت ےکہا یا آپ ( اق نے اپنی رش سے پلا سال ٠‏ 
تاور نیس دہے جے ۴ چنا حطر تآرم علیہ الام نے اک سے الک رک اور ا نکی ولا بھی الکا رکرکی ہے او رار علي للام 
AE‏ مول گے اور ا ہیں ئے گج تو کوکھا لیا اور ال نگااولاد کک کوک ہے اور ضرم بک وم علیہ الس نس ا 
اوا طا کے 'غذل؛ 
© زخن ای لْزت ض این صلی ال يدمن خلق لاد جين لمت یف ا قَاخزخ 
. ذرَيَهََْصَاء كَانَهُم الَزُوَضْر شرب كيف ری فَاَخْوج ذُزَةمَو خی یر سر جم سے 
و ولا بل ؤ قَانْلِلذِىؿْفی کَولوالیشز ی لی التّار وَلَاَأَبَالٰ۔(رہ؛ص ٰ 
”اور ضرت انور روا راو ہی ںکہ سرکار دو ھا ی ابش لی رکم نے ار شار ییا کن رک ھت ری کل طز 
۱ کیا توان کے داتپے مونڑے پ ہا تھ (وست قدرت )ار یا ارس کاعگم و اور اک سے سفید ادلا گال ی کہ دوچ یا عیں :پھر 
نیس مونڈتھ پ اھ ارا اور اک سے سیاداولاد ڈائی ت کے دہ کوک تہ پچ رفا کے وای طرف دا درلا ر کے پار وین رای اگ ہیں 
اور جج ھکو | کک پرا یی بے اور ان(آر ۴ اق ےپ کل نے لادک پر مورک روز اور کے کو ا کی داہ 
کے زا 
© وَعَن این َضْرَةَانْ رجلا ِن حاب ائی صلی اله يسان ت آلز الله حل علي أضحائه 
ودنه َمْرَیتِکِ َقَلوالَّهمَا يكِيِك اميل لك شل اللو صلی اللُعَليه رَسَلم خُذمِنْ شَارِبِك نو افر حتی 
لانن قان بلی وََکِن سَمعْت زشؤن اللوصَلّی الله علي مليفل ا الل عَرَوجَلْقَبَص یمنته قبضَۂوَاخزی 
اليد ال زی فان مہ لا موہ ولا ابال ول1 آذ ری فنا انين ّا رود ا ) 
اور حضرت ال نرہ زاوئی ہی کہ مرکا دوعالم پل کے اہ میس سے آی نف مجنا نام عیدائل جیا کے پا ان کے دو ست الناکی 
ارت کے ے نے (تو انہوں نے رکا )کہ وہ(ال بد الف بر ور ہے تے۔ ا ضہوں تن ےکہا جاک ہم کون جےزز نے وٹ م ورک گیا 
ْ آپ سے اروام نے یہ ا رشاو فیا اتال تم ا 7 00" ود اکان تا رووییاں کل تم یھ 
) ہے (جشتہ میس )لاقت کرو ائ عبرالا کیا ]ای ! اکن نے نمار رومام ون را ی )قا کے سنا ے کہ انش یز رک وی رترنے 
عق وی ی ای رج ےج اتا ٹین یس بدا ہے آپ انال حرج تح ری رہ اٹ علیہ سے بیکھ روں سے ہوا 


ظا ری رر 14 . ) کا ۱ لر اڑل 
ْ ا سے دا پھر ی یس ایک جا عت ی اور فا یاک یہ (وا پت ےکی جماعت )جقت کے لے ے اور پا اتک مات روز کے 
رر شس د سس کی کیش دہ 
ا زی می ہوں)۔" ا( 
نتر رت ا یرغال یہو ان کے 0-۳ ) 
رد بے پل" ١ا‏ لوگوں سے ۔کییت وک ھک کہ اکآ پک وکو رار دنام 8 می کاشرف مکل ہے اور پھر ری کہ 
قرت و ےآ پ سے بی فرایا اک موی وچو ںکو پت ! ارپا اور اک پان ر بنا یہاں ‏ ککمہ جو کو شی یاجشت 
ل کے لے ملا جات دا لا آ ب وجنت بیس س کارددما ۶ Ê‏ ہف یڈ "کک جت یر1 ہو 
اوز ای نکی سارت سے بر ہو خی الام کے ہو یس سا او معلوم ہوا اک ہآ اغات ہاش ہگ او رپ اییا ن و اعلام کے را کر 
اک وتا ےکوی ری کے ینا پچ یروناکیوں؟* اور یہ کر وگ مکیسا؟ ا اچوا ب ردق آنگا ہے ے دا اک اورجھاے او اک یشار تک 
۱ صداقت کا افتقا ری سے لیکن ورگ الم بے ٹیا دوجو تاس رتا :ا لکی مش کی کاوخل ا ہے او کر خداتخال 
نے تور ریا ےکم می یی کوچاہول جن تک وات سے وازروں اور کو اہول دوخ کے جو ال ہکرروں اور الاپ وا 
۱ نہیں ے۔ تو کے جیا ہہ خو فکراے جار ے کن تا موم راکنا الیاجہو؟ اوررل| ک خوف سے لرزاں او ھی ڈ سے اش با یں 
کہ تا کے راس میرے مق رش کال رکھاے۔ . 
سی الناکے جوا بپکا ال تھا لیکن یک وو ےق ایض ATT‏ 
اورا اش گا خی ای ن رجا وک ات وٹ نے کےا ی شارت تی م سععاوت سے “وار ا 
اتک می ادات سی ٹل شر شل فا و ںکہ ال میٹ شل ا طرف ؛شاردہ کہ میں کیک راش موک 
سار ال رة ر اورکیٹ, اي وکر ے رونا جقت ہل زخول اورد نس رکاردوعام E‏ کے زر سای ہر کاز راج سے ` 
7ت ال سے معلوم ہوک اس ایی شکور کے ے ی مو O E E‏ 
لاج اھ سے باق سے چ حا یتس مد سس ساس کی بے و تع 
اش ` 
) رض بن عباس عَن اق صلی للهُعَلَيْ ململ لامتاق من هرا َبنعمَانيَعيِی غر خر 
ھن لی کر هد راما قت رهم بین دزو کر لمهم بلقا ناشت بتكم قًزابلى هذ نايوم . 
۱ ہے انا کنا عَنْ هذا غَافْلْیْنٌ ۇۇلۇ اِنْمَا 2 اڑا من قبل وکا ره ِن بَفْدهغ لکنا با فعَل 
الْمْبِطِلزہ رواو اھر اٹا راگ 2۴!) 
”اور شرت اہن ال راوکی اد عرکار روعا ا لی ول یہ لم نے ارشارفری ا توا نے میران مرن کے قرب متام نان 
آرم علیہ السلا مکی ا سا ولاو سے جر انل یقت سے کی ھی کہ لیا چا ہآ دم علیہ الملا مکی پشت سے ا نک سا اولا کو الا یکو(ائرل 
سے اہر کک ) یر اکا تھا اور ان سب آوچ و و ںی طرح آ لے السلام کے سان پلاراچ غر نے ان سے رو توک فاا کیا 
شی تما ارب یس ہوں؟1و مک اوالار تن کہا ےلآ ہمارے رپ ہیں پچ رخدائے را بی شبارت یں م سے ای لے کی ے 
کم ہیں م قیاہت کے دن کے کت لوک جم سے تافل نادقف تھ پان ہدک ار ے پآ پ واوا 0 
۱ دیما نک ولاو تھے نے ان گی ا طاع کین یکا تل پر توں کے ا ال کے ہب ہلا کک راہ "ام ا 


تج E‏ مسا سر سیت 


مام رن جرد ) ee‏ ۲ ٰ ول 


اس ےمم یا یں کے سا تھے 7اد ۵۵د 22 7 دا می 
بل رسے ت ایز ا نکقروشرک کے اص زت وار مار سے پاپ وادا یں جنہوں نے پیل اس راست پچ الا ال اتپ سے مورو 
لزام دہ کے ہیں کوج اب ووز سے ن بک اسک مزاب کے ی ود لوک یں جو ای راو 
کے ہیں رو جھے۔ 
سے رک وک کر نے دالوا چان وگ 7ت ات ارت کے از نیس ہو کی اوک ای لے 6ے حم تے 
یلو رکا ٹا ار پیل ٹیک رالیاے اور و - شارت ر ےک ہو پر کی عو اقرا ارو اورا کی پار دا کے نے زور دنا 
کے تام سول اور ام طیتوں ش انیا م اللا ترف لا ے اہ دہ فو انرا کو ا۴ چا عہدد ریاد دای اور انکر 
رامت رای mS‏ 
2 وعَ انی کنب لی فول ال عرو لحد ربمن يج اين طهؤرهم دهان جمعهم فجعلهء 
راجا ور ا 
الَا بلی؛ قان فاي اه عَلَيْكُم؛ مات السَبم والازضين الس راحھد علَيكم بام امم ان تفؤلوايؤة 
EOE‏ نش رگا بی َا لی سَأزْسل الإ رسلين 
ركم عَهُدی وَبیقاقی ازل علیکم كت الا شهدنابانْكَ بنا وَالَهَنا لب آنا غيرك ولآ لئ يرك 
فَاَقَززا بذك وزفع عَليھم اذم لطر الهم َرأ الع وَالَِْيروَحَسَ الضُوْزوِوَدُون ذِكَ ذقاز رَبَ ڑل سَزَِبَ 
ین بادا قال إن ببب عیب آن اشک ورای الألييآء فيه فنل السرج عليه م ْزْحُسُزاببیفاني احرف الرَمَالة 
. البق ۇۇ قله ارك وَتَعَالٰی اذ آخذئامِنَ اين ماقم إلى قَزلہ سى بن ريم كان فی تلك الازز 2 
فزْسَلهُالیمَریَم عَلَيْھَ الس افحت عن ا نهدل من بها (رداد م ) 
”اور ضرت الب نب" ا آُہٹ: ERO ET‏ أدبن ظھزرهمڈز ڈو که ترما : :نپ مہمارے بر درد گار ۓے اولاد ٌ7 
EY N NEON FERO N 7‏ اد رای کی کو 
بالا کک خی یکر ےکا اراد کاچ راکو کل وصورت عطاکی اور پروی ہی ہاور انہوں نے یں یں ران سے وچا نکیا 
ا اوھ برا نکو ا سے او ےگ وا را اررے مل چا کیا ہار ار ب؟ یں ہہوں؟ اولا رادم ن ےکا بے شف !(آپ مارے رب یں خمددائے 
ھال نے فرباباء ںات اآساتوں اور سراقوں تر ئو ں کو کہا ر ے سا ہے واا پاپ آدم/ اک کر بھی شاہرقراردتا 
ہوں ای ےک تمت کے رن یں م ہے د سک لوک کم ای سے ناوا لف تھے (اس وقت اخ ان انت ر 
ورے اورن میرے وا 1 پور دگارے (ادر روا یکومیرا ار ر ارہ دیا ی کار سے ا اي عمقریب نے ر مول ؟ کیو کا 
۴ نہیں میراہدوویاں اودلا ی گے او رت برا یکنا ٹیں نز کرو ں ک(ہے نکر) ادلا آم ن کہا ا ماس یا تک وا و چک تو 
ہمارارب ے او رآوتل ارسود ہے ١‏ ہے موا ہتوجھاراکوگی بر در گار ے ادر د ہے علادہہمار 7 معہورے ؛چنان آرم انل کی 
مارگ ولاو کے اش کا اقرا رکیا بر حضرت آرم علیہ السلا مکو ان کے او بر پان ےکر دیاکیادہ(اتی نگاؤں بابر کے ہو ئۓے) انل مرکو دی رے 
: آم علیہ السلام نے وک کیہ ا نکی اوفاد امی کی ہیں اود فقی نیو رخوبصور کی ار اورپ رسو رمت کے دی کر انہویں نے عو 
کیا پردددگار اٹ خھام بترو وآ و ےجا کیو ںی جنایا؟ اللہ خا نے فریایاہ شل !سے ہن دگرتاہو کے غیرے نے میا شنگر وا 
کر تے ریں "چرم عل للا م کے انیا کو وکیا جوا نول ارو ن او رتور ا کے او ر جلو وگ تھا ان ے خصو ہی کے سما کر 
رسال ت وتوت کے لئ ععہددچیاں لے کے جاک اش تھا یکاقول ے: وَإِاَخلمِن اَن میاقھ چو مكو نزح میم ٠‏ 


اہر بر ا کین ج۱ 5 لہ ال 


سی شى بن د مويه وس :اود جب جم نے چٹمبزوں سے ات کا ہد پیا لیا ادر آپ گیا کو ے اور 

و ایا اور ایرام ایی ے اور موی ایی بور ھی ایی بن رم سے( یا یدد پان لی ان روحوں کے درا ` 

ضرت شی علیہ السلام جے چاچ ا نک رو کو او تھا نے صرت ج رمل علیہ الام کے زرو فرت م مایا لام کےپاس 

کی دی حشرت انی بیا نکر سے ہی ں کپ رو فار ضر رم ییا ملام کے مت کی طرف سے لن کے سم یس دا ,۸ کک 
2 :شار عل !لس ٣ے‏ چب ال اروا میس فرش جا 1 2 0., وک یآ لو باے دار او رصاحب رولت ے اور 

) کو نرب مفل سو یں ترت مول اورا ہوں ےا الو سیت شمر اک الہ این سب م ری اول رش سے ہیں اور بھی 
سے بے نیپ ران شر فر یکیو کول صاحب جا یت ے او رکون اوی و 02 
و یآ 
اجا بے اچک ان شاف اکر ےک ایک کت چاو ای اک مصلت ہے اوز ودیک ارس مک 
29 سار ارد تا ].- شر او : ہر اور چپ ایب انان شل وہ صفات وخا مد ارو سےا امیر کے جورو رے االو مل یس 
ر‫ ہوں ےووہ کیک دوسرےکو تیھک شک او کیاکی کے ا یر ت او یغلس می قوی اطاعت اٹ یکامادد عون قب وومر اور 
دزیا سے بے کرک موی ےکی اور مالدار ی٣‏ شس ہو اک شر ارارک روتک زر واا اور باب معیش تک یآ سانیاں 
اک و یں جوخریب و عتا کی یں ۔ 

زا ی کے انر ر جو خم ای ہوں گے اوروہ ان لزت ے اشا ہو دو سرے کے اتور ال اترات 7 وی خت ي کر 

۰ زا رہوگ ا سی ناء مر نید ارمت ایر 020 

تا رع یی راذا نما ئن عند زشزیاللِصَلی هلیه وسم د گزمايگون ذل سول ل 
صلی الله عَلَو ملع اذا سوقم بل ال عن کاب َوه واا س خم ور جل تیر ڪن حأ لزاب ٰ 
بصب زالی مَاجبِل علو (رداد م 

"اور نطخرت الوور را ہے ہی ںکہ جم سرکار ددعائم پٹ کے پا ہو انر وق ہوئے وا یں نوک رر تھے 
رول اید ا نے (ہاری او کو ےکی رای ج بت سنو کول ای جک سے سر ٹکیا ےتا سک ان ٦ت‏ ْ 
ا i‏ اسک فاق ت برل کی ہے توا کااتپار ہگرو! بی ےک انمان ای چر کل طرف جا اے وریا ے۔ اا 


تر :سی بآ شس کے ہوئے مہ بج کر ےسک جر جآ کد ید اہونے وال اہو اش وق یڈ ہونے وای یں کیا وو وشن 
۱ تز ے مطان وگ یں یا خود خی اہ رد کے وا ہو ہیں سرکاردوعام پل یاس کی میں تشریف خر تھے آپ کک PE‏ 
نکی کٹ نکر فر اک ہرز وشن خر کے مطاب بروقت ٤‏ قوذ مون ہے اور شال کے طور پر فرایاکہ ایک انان ای تل جات 
5 ہر فقت پ پا تح اک پیک 3ر تاچ اود اک طرف نک ان رتاے۔ شا سکوخداۓے من رودانا بد ایا اور 
1 سی رشت و فطرتمں ود لس کاعادہ وو چت را اور ا یاز ل E‏ ٦7ھ‏ یس 
پر بیس ہو سک +۲ کار یل کی جبلت ماقت کے ساچ می ہاور 7 ررر فد ۹0پ ْ 
اشر ر موسلا 

ابا ےار دجو ایا اضر مق اورزال کت وو و کاپ لی دواتء سر لی یں یا ا کاب a‏ سی 7 ۱ 
ہے اتا ا کےا از ضا کےا کی ات ون شی نے نی ہیں نس لے ےک میا بث جبلتاذرخاق ت کی ےک یں اما کو 
e UAL ag.‏ ززا تو ۱ 


) ملام ری جرد ٌ7 9 لر اقل‎ ٠ 
WIPE کش ا پتل )7 اک ری کک اوت سے سای سے‎ 
کیا ے ےکم یہ اٹ نے ولوش ا ینیل من روو اور بت و قرت کیا صاحب لی کاو بس انس وخ فکو ی ل کر نے ما‎ 
ین کا شب قف رمت راچا کیا ش مات برا سی یس نہ پا حت ومن کمک رق ہے‎ 
اورن کی لمت ری قرت وححبت‎ 
| َخَْأة اَن یرم الزن بيك فن کو عم وخ من لن لشیو یالت قن‎ 2 
7 ناضاتین َء نھ إ مۇم كرت علي ا5ف ءي زی :ہب‎ 
ْ ”اور حضرت ام لے سے رواییت س کہ انہوں نے مرکا دوم و سے مر کیا ہآپ پک انے جز ودک یتما ی ضر‎ ۱ 
کن اک ود ے ای کال کی دج سےآپ 89 کی ف ہر لے ؟ آپ نے فا اھچا کی دذیت ملیف ایا ری کے‎ 
۱ یہ نھ کی یی ج بل اوی کے اندر ہے( ہے سج‎ 1 


َابِْثاتِعَلَاب ابر 


عیفر اب شر کے وتک مان 


مزاب ترآ و اعاریث سے خابت ے ای کوگی شر او رککا میس ہی بات وان نشی ک یی جا ےہ یہاں قیرسے عراش 
ڈڑھ دوگ کاگڑھا فیس ہے بک تبر امطاب عالم برض ہے جوآقرت اوردنیاکے ود مان ایک الم سے اور ے عالم ہر کہ ہو مکنا ے جیے 
ین لوک ڈوب جات ٹں؛ ہلارے جات ہیں *اکر الیل تخا پاتا توانر کاب سآ کیا جانا سے ہے ایس سم ےلم شع لوگوں کو 
زشلن ٹیس وش نکیا جا ہے مرف ان کا زاب ہوتا ہے اورجو لوک دوسرے یق ا خت کے یو ا ا 
مزاب کی نیدی کے ر ریات کی اور اوی مہا کی با تکااحقادو ین رکمناضردری ےکہ ترش نکر نے کے بعد مد اگ 
وک دو راغ الک یورم تو ہیں ادرجولوک پدکار وکنا کر ہو تی ال پ شید اکا کٹ یزاب ازل کیا چاتاے۔ 
ای للش گر زا دینذدالے فرش اور انپ و کچوک رور ول پر گے جاتے اور نکوجود اعادرث سے 
ثاہت سے سے سب اور وا ای 4ر تلات اا ورف ہے۔ ۱ 
ہے چان لمجا گے کسی رور لیا 7 ا شاروش آ ھاناہی و کی سداق تک یل 7 یی لی ان چزوں کے بارو یل 
ے بات ول بیس اف کر امہ جب ان چو نکو اھ سے وکیا جات اورے مثا ہرہش نی ںی توان اتا کی ےکی جائے ؟ کل 
ذو ظا کی چ کی سن ےک اق با تتوظا س کے عا الا ٹوو ںکامشاہ روک ریا ا کو تک وم ہیا ان اہی گکموں ٰ 
لات کے نک مشاہدہکرنے کے م یق تک رورت ہے ال یات ت مک یں ےک آرفراچاےآوان ٠.‏ 
٠٦‏ وون ظا کی کون ےکی کرت کرک سان 
ردوسرے رک اک وتیل وکت ہیں کک سی ہو ہیں ج کو اہی ات اور ھی و نکا مشاہ کرک ۱ 
یں :لیکن ای کے باوجود اکا درا کی ہوتاہے اور ا کی تقیقت بھی تام موی ےط ایک نس عالم خواب ںون کر زی 
ہا کن ہچ پر طح ےو یہت اورلزت وآرام محسو کرجا ےکن ووسر ا سے نیس دک کا بی طح ی فض رون 
کڈ ہر FTE‏ ہہ ہج 
دنن ۱ 


ار ی E‏ | کول اقل 


یف ن ہے یا؛ سے لزت مل سے پا ضا کنا یہی سےا ی ہا اک سس ے 
ٰ ہے رتا چ اورودائ لکا ادرک ذ احرا ی پیک رسلا ا ۱ 
ٰ مان وٹ ہوزت ئل سرکاردوعالم کت کے پا دق ا کی اور تحرف رٹل علیہ السلام اللہ تک پام ےک رنحضرت سال 
۱ علیہ وم کے پا ںآ کے ے مین وہیں ٹس لیے ہوئے سیا میں ھت اور اک قاب ری میں رت ج رک لامش ر ر 
یں بن کیا کے پا وتوو لی گرا ا یہ امان لے ۱ 

۱ یک ایا رع مزاب ترک محاطلہ سے وہاں جو Aie‏ ادرا کیا ہا سا سے مو رنہ ان 
کہ سے سے وھ یا سک ہے لے ینطاب کاش خدا وذ رسول نے کچد 
سب یبر قیقت او رق بی ہیں۔ ٰ ْ 


١ 92 1 80+0۵30 )‏ لار ) 
0ء ار ون غاز عَن ابن صَلّى؛للهعلیه وَسَلمَقال لِم اف یل فی القبر َنْھَدانلله لل ان 
مُحَمَدا رَسُوْلِ اللَهفَذْيِكَقَلهَعَالٰی؛ بس تيب الله الین اما ڑا لْقوِالقَّبِتِ فی الْحَیو لیا فی الأْجرۃ و فی رِوانة 
عن الّہ صلی الله عَلَيةوَسَلَم قال َب الله الِبْنَ أ موا بالق ب الات ّث فى غلاب لر الهم رَبك 

فو زی ال وی ىڭەي 

شرت برام :ارت ا دراوگی ہی کے رکا الات ڈپنا نے برشا رای E‏ آ2ا بور ۳ 
۱ ےکم ال تال لے سو اکر جود آل اورا مر( پا اا کے ر سول ںاو رای مطلب ہے اود شاددبا یکا قب بت E‏ بن 
أمَتُوٰاب 8 القّابتٍ فی الحَیٰو دلاو فی الاجر ۸٤4‏ | اللہ الین لوک ںکزخابت وتام رک ےجو امان لے یں 
کک مضبوط و کم ریپ ات رکا زر اور رت تل اورا ایگ ردابیت شش ےلم اض ہہ ئےفرجایا۔ آبت رک اللہ 
ا موا باْقزل اللَاتِ داب تر کیان درل ہل چ اچاچ رم سے الک جک مار کون چ8 
کا ےک میا ارب لق ے ادر کے ا مم جو ی زار اھ 


شر : ایت کو رہ س اقول ثابت ے مرا کہ شارت ےن جب مون سے ترش وال کیا جا ےک را درک : 
ہے اوت ران رکون ے او رتیرادی کیا توان ینو ں مولو ںکاچوا باک یشارت تا ے۔ 
آیتاکے دوسرے جکامطلبیہ ہے جو لوگ ایا و سک ری سے ان ےلوب ومنو رکز لیے ئیں او جن کے ر لش ایان, ) 
.الا مکی اٹیت را او رت ہوا سے اللہ تیا کی جانبدے دمیا می کی او رترت یں وو تہ الپ رتت دا ون کے 
درواڑےکھولی دے جا یں۔ . 
زاوی ڈزنرگی س کان ل تو ےکہ وہ اپ لن ٹیگ دول کو عاسم ا نیت اقا راک تاور ان کے ول 
٠‏ ااك واا 8 اودرو اورطاقت رد یاسے ےک وا وی ا ان و اڑا اش ے کٹ سے ن مو کیان ا اے الال میں 
مم یئ یں ال ووا ول 1 ا اکر وا اور میں ڈانے جا بن کرت ہیں کنا سےا ران واتار زرہ برا ھی کیک وش - گرا 
4 رم ؛ ین 201 


ےت ات از FTF. N‏ سج و 2و 
نے مغ کوج سے ردک اقاب سے پیل زد امش ش رک سے ا 


غار جرب 8 ) ول 


ٰ ۱ انزوییزن گی ش١‏ یک رمتا ي رح یا 07 غ کی رت یل اور ھا JET‏ 
ہی وو ی یل جاب ہی تر ری ہو ہج 

ےہا ےا 
1O)‏ انس فال قال رَسؤل له صلی الله علج وسم إن لعَبْدَ اوضع فن ره زی عله اضحَاہه راه 
. مع قز نغالھم گان مد يبفیلزا, عات تفن فی هذا الرجل لخدام اهومن فيقول اَشْھَد 
نه عَبْدالله وَرَسُوْلَه فيقال له انظز إلى معد من لار ق بدك الله ہو معدا ِن افير هُما جَميغا وَأ 
اناف ی والْکافز از ل اگلت تَفُزْل في هذا الرجُل فيفل ل آ ذرِی كلت اقول مَايَُؤلَ الاس يقال لَلادَرَبْتَ 

۱ وتيتو وضرب ہما رق من حَدِیِی ضْزیَةقَيمِیخ صَيَحة يشما ميلب غي رامين تفم علیہ وافظہ لھفاری) 
“اور خضرت ا راوگ ہی سک رکا وویم چ5 نے ارشادقرای جب بد تبر رک وی اتا ہے اور اس کے اعزا و اھباب وای کے 7 
۱ مہ ںو ده (مروہ) ان کے چوآوں کی آواز سس سے اور اک کے پا ( قب ددفرٹےآتے ہیں ادر ا نکو شاکرپ ھت ہی ںک تم ا نخس 
تج ڈگ کے بار ہج کیا سک کے ؟ ای کے جواب شی بندہ مو نکپتاہے :می اس بات کرای ر اہو ںکہ دہ(عھر و بل شی اش کے 
کر سے اور 7 00 ےکہاجاتا ےک ہکم اٹھکا دو ژر می رھوج کوشا نے بدل ویاچ اور ای کی 
2“ س ي جقت ںیک دای ے۔چا چاچ وہر رورونوں قاات (جّت وروز کو کے اور جو مردہ ۳ %8 ا اھر نا ہے ا لا سے 

کک کی سوا کیا اسنا ےکیہ ای سط نع چا کے پادہ می سک کیا کنا ھا ؟ وہ ای کے جواب ج ٹاک یس بیس جات جوا ۱ 
( من )کت تھے یں کہ دی خی اس س ےکہاجا اہ تو ےل ے پیا اور جو نے ترآ ن ریف ھا ےک کر ا یک ولوے .. 
درل مرا ا کہا کے اد چا ےکا سواے جزل دراو کیک تا ور ں۔' مار 7 

]ے۱ الفاظ ری کے ہیں ) 


شرع ogit‏ و ا تاب للع زا رط 

یھ یکا جات ہے ررم کو قرشل ا تما ر نے کے بعر جب ال ا اقارب وا ں لوٹ ہی تو اس شی راک جانب سے ود قوت اعت 
زی جال سے کے ڈراہ وہ ا لوخ والوں کے جوتو کی آواز مخت رتا سے اس کے بعد کر تبرش آتے ہیں اوہ ال سے 
دورے سواللات کے علاوہ رکار دو عالھم پل کے بارہ ٹیل لوت وس کہ ان کے ا ہار عقا کیا ہے لگ رد کن صار ل برا سے 
ووو داب رے يتا اور کرو کافرہ ےوجواب یں دسے تابرش ردنا راونا لگ اتر رااش رھت وز 
i‏ 0 مو ں کا ا تن قارو سے گیا سے چنا کا لا زل جن کی طرف گار اما یکردی وا سے غلط اب د ےھ الاغر! 

کے شض کا بک یقراررے دیاجاجا اور ا ے سک یڑ رل مل دوز کی راودکھمادکی چان > 

| دی یں ج وی فر یاس ےکہ مر دہ ےک جحت ہی ںکہ جم ہ رخف مر چا کے پا ری سکیا کے جے تو ا امطاب پا رس 
. کہ حور پچ کیاشہر کی وج ےآپ کی طرف حو ی اشمارہ موتا ے کے ال وقت سرکار دو ام کوشا صورت 
میں ردہ کے ہا جم سکیا جانا ےا سی صو رت می نکراجا گا الہ یآ ان کے کے تا ت تن تی یت یی ان 
e IL‏ اور مرکا زروعا م 2 کے یار سے مور و شرف ہوگا اور یقت وہہ ے 
کہ عاشتقالن حول کے بے ناب و بے بش نقلوب کے لئ اک کے ائ رر ایک زیر دست بشثارت ہے ۔ بقول شاعم سے 


ت ياشقالن. ړل ج رر وراز او ۰ ) 3 می 21 اول مج دک ام پاد 


ابر رر ۱ : AF‏ ) ۰ جلد اتل 


”رچ “عتا نی شب ارک قرط اول شے reee‏ بح ہوجائے۔ ا 
۱ کیا سوال وجواب کے بو رکا میاپ عردہ یی سلرالو ںکوروئوں ہیں ن جت ودوز خ رکال ہا ہیں اوروددولوں قات رتا ) 
اک اس ہے معلوم ہو چا ےک اکر خر ای رت اس کے شا ی مال نہ ہو اوروہ اال رور یں سے ہونا آو ای روژ شڈ 
اجات جہاں قرا کے دردناک مزاب مس لا ہوتالیکن اک نے ای چکگ نی ککام کے او رماتل موک کر رہ ال کے کے 
یس خدا کے شل وکرم سے سے جت ٹک ھی کے وازا جار ےڑیک طرف کور دوخ اور اس کے مییت ناک منظرکی طرف 
کے گرو ری طرف جقت اور ا سک خو وار و سرو ر فا طر نظ ایا اتا ےن ےس گل رورس 
٣‏ اک حدیث شل فرا گیا ےکہ جب فیس معزب مردپ زاب ناز ل کیا اتا ےی ہے لو کےگرزروں سے ١‏ لکومارتے ہیں 
) تقوائس کے کے پلا ےک آوازاتان س پاتے ہو کی کت ے ےک جن و اس خی بک چڑوں پر ائمائن لا سے کے ملف ہیں کر 
ا نکوآواز سا رے یاوہال کے عالات کا عم اس ڈت شل ہو جائ توچ یمان اب جاما رسےگا۔ نذا راک قر کے حاللا تکا ایال 
انمالوں کوہو نے گے تیقوف و ایی تاک دج ے دتیاکےکاروپا رس ال ہار ےکی اور سلسملہ مسن ت وچا ےگا۔ 
جع اخاویث شس مم نکی عبات اورکفروں و مان کے مزاب کے بارس بی رکا اتا سے چنا ہا اتا س کہ ا یات 
لق مین این سے چ کن فا کنا گا من کے پر زٹش اعادیث ہلپ کو رن ہ ےک ہآیا لن را بک یا اتا ا نکی 
بھی یات موا ہے الل لا کے ہی کہ فا من جواب میں ومن ماکان کاشریک سے کین تو کی شار جتنت کے 
) ورنواز ےک خی دیس و نکاشرک 21 یس ےا اکر ون جر 8و کاک شیک موتو یرم می وور جہ لان ےآ وکاک ایر 
تو یت طذا ہگ تا چ ہا تناک کا تان پا تو ا ےد ے او کی من بے 
۳ عن الله ن عُمر قان قان َسُؤل الله صَلَی الله عَليه صلم إِنٌاَحَدَكُم اذا اث عرض عله مَقَعَدهُ 8 
بالْعَداِ فو راشي ان کانمن اهُل الْجَتَة فمن اهل لحد وَإِنْ کانمن اهل النَّارۂ فمن اهل الا يقال 8 
حى بعك اللَهُاِليويَۃ ایام نعي ٰ 
اور لاہن ر راوکی ہی ںکیہ رتا ووعا م نے نے قراج تم جس ےکوی مرا ےتوہ رکے اد ی اور خا ما کاش 
کے ما نے لایاچا تا ے اروا سے شر دکھایاجا اہ اور ا کی کہا چا تاس ےکم ہہ ہے مرا کا شا کا الا کر 
ا LE‏ بے | ھا اروا کے “ار 2 
© زغن رة أن وة َخَلَ عليه رث عاب اقَبرٍ تله اعاذكٍ امن عَذاب ‏ ت رِفَسألت ۱ 
اة رسو الله صلی الل عليه ولم ن عاب القبر قال نعم عاب ابر خَقفالٹ عايفة قاراب 
سۆل الله ضلی اللذ عاب وسَلمَبَعْد صلی صلةالا دبالل معدب الْقبر۔ ن علي 
”او زحضرت عاش راوگ مہ کر اک یہو عورت ان کے ای اور ای نے قورکے راب کا وک رکیا اور پھر ای نے حضرت مات 
ےگا عا اٹہ NIE‏ یزاب ر ے ٹول ر کے ضرت عا تش نے سرکاد وو عام پر سے عاب گی رکا مال وا 
آ سپ نا نے رای اں ت رکیز ا بآ سے ! ترت ما نراق زک اس داقعہ کے بعد یش نے ٠‏ بی رسو ال پچ ک یس وک کے ٠‏ 
آپ 2E ê‏ از چ ہو او تی رککےعاب سے پات اگ مو “رکا و ۱ ۱ 
تھ عضرت ماشہ مہ لتق ہک وزاب رکا حال علوم یں راچا چ جب الس ووی عورت نے لن سے ا کا 7 ریا وو نژ 
تبرالن موی اور ریا دو عام کو سے اس کے پاروش موا ل کا شکاجواب رک اک تامزا بش اود نی ےی اس ات 6 
٣‏ اناد کنا دی ےک قرم سکزاوگارلوگوں نہ خداکی جانب سے طرح لح کے مزاب مسلط کے جات ژیں اور ا کا سا و اورک ۱ 


مار ہر ہرد ر ) ۱ پلر اول 
اس وتاش کی ںسکیاجاسکیا۔ کار روم ہنا کے نادان کے بار سے مس اعقای ہ ھک ہو سکما ےک ہآپ کوک لم سے ت کے 
مزا ب کاعال محلو نہ ہوا ہو؛ اس کے بعد بذ ریہ وگ آپ ا کو اکا م ہوا ہو شی کے بعد ےآپ نے ادا ای شرو گر 
د اور ظاہرے ٤گ‏ تو پاب آ آححضرت Ê‏ کے سامح دوش ریس اس اس کو مدای ہو کا سال راب وس کہا جا ےج ۱ 
O [٠‏ نا ئا ا تیکلم کے لے کہ جب ند کا وب درگ دب دداود ا کایارارسول مگاعذاب ترے پا 
" انگ اہ ےتو امت کے نام وکو ںکو چا ےک زاب تی سے پپا مات رہیں۔ 

ا اھا اگ عڈاب راجالل ؟ خضرت پا کو سے سے معلوم تیا اورا شید ورپ ! اس کڪ اہ تھی مت ہوں کے سی 
تضرت ما لوج نیس موک بی ین حضرت مان جس ات ے لخد پ پت دای رھ ارک نکد سرے 
کی تہ ہوں او ریز اب تر ے پا :ما کے ہیس 

® رن رند نابت قا اشۇ ل للّصلی هلبه وان خاي ىى اشجارغلى بف ۇئخ مذ 

خاد تبهو ادت تلقو و! اذا اق سٹاو فة فقال هَن بر فٔ اَصْحًَاب هذه والأقبرة قالر جل ناقا فمَلی مانا 
قال فیا زك قان هذه الى فێ قزرهافْلزَأَأنْ ا نذا الۇت اهن اينمۃ عاب الْقبْر 

) از آم نة ماقمل يتاب رجه لقان عردو باللوز عاب اّارفالزا يلون غذاب اارِف ڈو 
باللومن عَذاب القبر قالوا ئز مود الله من عَذاب القبر قال تَعَودُو الله ين النن ماظهرينهاؤمابلن قالؤانغزذ 
باللوون القن ماهر نامان ار عدوا الین فة لجال فَلْزَائمُز د باللو ين نو انان ٹر ۰ 
”اور طرت زی جن ایت راوگ چ ٹک (ایک رولا چ پک آحضرت اٹلا یا نجار کے با شاپ پر سوار کے اورم کی 

> آپ ہت کے راہ ےک اچانک تچریدر کیا اور رب ال ہآ اپ لاق کوک رارے ٠ج‏ ہاں پاچ یں نظ ہیں ۔آپ چنا نے 
فی ئن آررالیں 7 کی جاتّاے؟ یک خخص نے کبیا نیس جات ہوں ا" آپ چ٥‏ نے فیا کب مر ے ہں؟ ( ق ما کرش 

مر سے یں با یمان کے ات اس و نیا سے رتست ہے ہیں)) ال نر نے ۶ نکیا۔ توشر ککی مات میں مرے ہس |آ آپ a.‏ 

نے راا ے انت ری تروں ازال بے( ان لوگوں سر ا نکی تہوں ٹل عراب ہورم ے) اکر جھ EY‏ 2 

(مرزوںکو)د کر نا چھوڈد می ہآوشیش شرو ر اللہ سے ہے دیا کہ وہ مک وی وذ ا بت دا ںآ وا کوسٹارے جک کول رامول :ای ٠‏ 
کے بع رآپ ان مارک طرف ڑچ ہہوئے اورا اگ کے وذ اب ے خداکی اہ اگوہ کیہ نے عوف کیا اک ے یزاب ے خرا 
کی اہ کے ہیں!آ گی نے فربایا تی رکے مزاب سے راک پناہ مو ہے لے عوف یکیا۔ مز اب قب رس ہم راک اہ کے ں! 
پ ہت ہے راپ ہر اور اھ فتوں سے خد ای ماج ہاو صا اس یم دا کے فت سے خا کے تھا کی اہ کے 
ہیں۔ "7م 
مرا :کا احا و شور اور ا کات اوک دیاکے تام لو سے باتک بر ہے چوک اس کے احا ظا ہرکیاد 
ای ںوہ قدرتی طاقت مول ے جک ناء پر وہ اس ونیا ے کی آ سے ما فی بک چو کا ار راک کر لتا ے اس لے ا یک ظاہری 
کھوں کے اھ ساتھ یی ںیقی طاقت در ہر ینک دی کان وو گی کک لا چ کے دا تا اس گات ٣‏ 


: ہے۔ 
ا پل ہیں سفرمی جارہے تھے جب آپ لے کاگر اک فبرستان ر ہوا تو وا ںآ پکی جم سس 
f‏ تر ارت7 وی E‏ جاور پگ رآپ و ےسا کو ن کک وو زا ب ہے ادا کر 


FETIH :‏ تخزرگی یں آپ اتب وک ہیں۔ اپل وتات ۳۳ ھ اث اھ ا 


مقار یں Ar‏ کن جلدائل 


RI ٣‏ مشیر : سے کاب سے فا اکہ وگ تر یں ںا ر 

تار ےکن ا لک کن یں تم ی شل ددباغ سے ہت وعوشو او تم ا کی اشرت وش کش ال چ یکر کے بے وش ہوا سے 

سم ہا اس فف درا کے ررد کور کنا ردک کر کے ا اخ شض مت ہے 
اکا شا رار ای سنوی اہ 


مضل القَاننٰ 


© وغ ڻ ای مُررة فان قا سزل الد صلی الل علیہ وسَلَّم یرايت َة مَلَكارِ اود ؤر ان بقل ً 
لآحَّدِ هما المُلكر وللاخر ال کيو فيفؤلان عَاکُنتَ تقو فن هذا الجُل؟ فان کان ميا يمول هُو عَبْدالله 
سۇ أَشْهدأنْلاإلةلا ال يرمز قۇن ق داعم اك ُو مل لوس لف قرم 
سَبفُ زاغا في وين م يزه ويال لنم فول ازجع الى اهل خروم يلان تم كتؤمة رۆس 
ای لاب اوقظة إلا حب آهل لیو خی عقة الله ون مض جه + ذلك إن گان ماوق قان سَمعبُ لاس بقوون قو 
فقت مِنْذة لآ رن فَْنُولان قد گا غلم أك نفؤل ذلك فان لزعي ایی علیہ نیم علیہ شختيف 


ئے م خر 


e‏ طلا عقا یال قامعا حى عة لن مَطجوه ذلك وہ تن 


”اور ترت الب مر راوگ کہ سار ددعالم ہا نے ا رشا قرای جب مرکو تیر کدی اھات تو کے اننا یکر یآگھوں 
وانے دفر آتے ہیں جن سے وی کو کر اود مر ےکوی ریت ہیں دہ دلول ا مردو سے پوت ہی نک تم ا سمش ۱ 
ر وق ینہک کت ے؟ اکر ووش مو ہوا ے تد ہکا ےک وہ ابد سے ہس اور ای کے کک ہد (رسول )ںاور ْ 
وای دی ہو کے خداکے سواکوئی مو یں ے اورا م پا ایل کے بندزے اور ای کے رول یں (ے نک )وہ روآوں 
فر کے ہیں ۔بم ہا ےک تو قرغ گی ک ےگا ۰اس کے بعد ا نکی ترک لہا و ورای یر ےک شار ہک ری جال ہے اور اس عردہ 

ہس س ےکہاجاسا ےکی( جاقامردہ تا سے نش چاہتاہوں )کہ اپے ای دعیال مم ولچ چا جاں تمہ ا ہکو(اپٹے ای عال سے تمر 
کن غیت سن ا ضرف تن پا و کک تحت و 
کی اجان اھا ی ںارک و سے وشت ہز ے الہ جب گرب چا ےتو چا یہاں لے خر تما ا لو یچ 
ا را اور اروم ھردہ ماف اکتا ےک نے لوگو کو جو کے سنا تھاوحی غ کہا ی کان مس (ا کی تیش کی 1 
نیس ماتا نال کا ے نوا بک نک رق یئ کت ہیں بھم جا کے و سک اش ق تو کی کے گال کے بعد زش نک وکل سے کم دا ا سے 
اہ لح اس مردہکو اس طرغ دہ ےک ا کیا دامیں پسلیاں ایس او پیش پھلیان یں کل ال ہیں اور اکا رح یش مزاب 
لار تا ے بہاں کک کہ الہ نا ی ا یکو ی مہ سے اھا - رما 

22 ٹس فر فت اک او روفاک شال مآ نے ہیں ادن کے قوف اور کی وج ے کازوں پیت ارک برجا ے 

اور وہ جوا ت و سے شل پرحواکی ہو ہیں کان یہ مومنوں کے لے زمائش و مان ہوا جس مس الد تھا ا کوٹ یت تم راتاج ۱ 

ردنر ہوک رج جوا رم و زیں سکیا وجہ سے ود کا یاب ہو جات ہیں نے اتی ات ار ےئ سم مج بی ہڑتا 

ےک دہ ری رم کے نوف درا ہے نڈرہدجاتے ہیں۔ 

مرو کے جوا ب میں شتو ںکا ےہاک ہم جا ےہ تین کی کے کا اراس ناب گا اص انح رھ 
دا جال ہوک کہ فکاں مردہ یہ جواب وم ےگا اورقلال مدەوہتواپ ر ےگا ادرک نال اور اس کے ار سے ہے ملو مکر لم ہیں ۱ 


ارا جد ۸۵ . طلر ال . 


۱ 21 2 یچتال 7 مالک تمس اور عاد ت ونیک 4 نتان تا او رکافردمنا فق کے ار EE‏ 
۴ من جب تواب دے زا ے اور ان ب مداکی مت اور ا گی فتوں کے وروارےکھول دیے جات ہی تو ا لگا ہے 
خویش ہوگی ہ ےک وہ سی اال دعیا کو اس کے الہ اور شیم تع تک سے دے جو کہ ج بکوئی مسار کی کہ راحو کون 
ااے اوروہاں یس وآ رام کے سبامائن ا سے لے مو توا سکی تھا گی ہ گی ےک کاشس امس وقت میں اپ ے ائل وعیال اور ا۶زاو الا“ 
۱ کے اس چاتا ا ہبی سم سم سا سس بس کې 
و ٹیس جان ےکی توا کا :ظا رکراے۔ 
© ؤض ِرون غاز عَْ رول الل ضلى اللهُءَ 0ئ00 یلما رن لمن تن وك 
يؤل رى الله فيلا اديك فيزن دێبىالاشلامقيفرلا مهد لَزَجْل ال بُعتٌ REE‏ 
الله قران تايرك کون َرأ ت كعاب الو فا ےوتف فإك فر تبت ليان ڑا اقول 


رک 
ا 277 ۶ ۳ 


۱ وع لان چين ززجھ رت رش غ اھ یی وراٹ انگ رمزنافن رخا ٰ 
جَسده تایه ملگان قي جل انه قفو ن ل رَبك فيل هاه ھا لا اَذرِن فيفۇلا ْلَه ادات َيون ما مَاۂ لا 
اذریٰ يلان له مَاهٰذا الڑّجَل الْذِیٰ بہ اعت فيكم قزل ها َا لا اذری قینتادی مُنَادِ مِن الِکْمَاء ا كنت 

فَأفرِشْوْهُء من الار ۇن اتَرِوَالْمحُوالَهَب الى القَارِقَالَفَيأَيه من حرا مها قال يطبق علي بره ٰ 
خی خف فيه آطلا عة ميض له آغفى اص عه زرب هن حَديِْلَز ِب ِهَاجَبلْلضَاز ر ابطر به به ٠‏ 
ماين الْمَشرِق وَالمفربإلا الین فير رابا عاد فيه ارو ح- (رد اا دائرداؤر) 

”اور شر پراء جن غاز راو یں حشرت پان سے لف لکرتے یں ہک ہآپ پا سو سر 
آتے ہیں اور اسے ھار اک سے لے ہیں کہ تار کو ہے ؟ "وجرا و سے "مرا ارب ال ے ! "رڅ رکد یں مر 
دی نکیا ؟ "وہ جواب شل کپھاے مم یوین سام ے " پچھرفرتے گے وال رت وس جو رص :دای طرف ے)ت ھماررے 
پا تھی ایا تاد رن ے ب وہ کے ”وہ شرا کے رسول ہیل پت کی ے لو ہس کے سم تنے بابادہکچڑاے میں بُیے تیر ۲ 
کناب بی اور ای بے ائمان لایا اور ا کوچ جانا شی چ کلام اللہ ایمان لا گاوہ رسول الد اتا کل یمان لئے گا 
آنحضرت پل نے فرای ایی مطلب ہے ارہ توا کے اس قو لکا۔ یشیت اللہ الذین امنوابالقول اکشابت (الا )"اللہ تیان ان 
ولو ںکوثابت تورم رکتاہے جوخابت بات پر ییا لائے (ا تی رآیت تیب آحضرت 48 ہے ںکہآسان سے ہے وال 
شی ال تھا یا ای کے سے فرشت )ہکا رک رکچ اہے میرے بندے کے کہا ا ای کے کے ہش ت افش اورا کو چت 
21 ناک کاو اور اک کے وا ٹے ج طرف ایک وروازہ کول وو ھا کہ جتسإی طرف روہ کول دبا جا کے 
آپ ê‏ کے را( جت ات ای کے اع تک کک ور تک ہیس تک 
کشادوگردیاجاتاے اپ ر) کافرا توآ خضرت ہل ے ا سکی مو تکاک رکیا اور اس کے بعد قرا کے پرا کیار ذح انس کے 
٠‏ یس ڈای مالا ہے دور اک کے پاس دوڈر ٹن تے ہیں جو ا یکو شار کے یں ”رار بکون سے ؟' و ہکا ے فپ 
نیس جا ا:چھرد: لپ یت و ں ”راو نکیا ؟ " دد کہا سادا نمس جانا چ روہ او کے ہیں٠‏ کون ہے ( وہ 
سے )نم شس کیا کیا ھا وہ چا ے ”ماد اہ بن میس ہا ٹا رآسمائن ے ا ایک ار سے والاکا رکر ےگا یہ ولا سے اس کے لے ٠‏ 
ہی کا س ھا ا کا مال اسے بنا اور ال کے وات ایک درواڑہ دوز ری طرف کول د وآپ Hk‏ سے یں کے 


ا چا ار ) ْ 143 ) ۱ ) لر اڑل 


دوز سے اک کے پائ کرم ہوا اور یآ ںاور قرا او ا یکی کی کے لے کرد چا ہے یپاک ککہ اھ 
کیپ ھلیاں ار ر اور ار رکیپلیاں )رھ نگ لک یں :پچ رائسل ب ایک اندھا اور افرشتہ مقر کی اتا سے جس کےا ل لوہ ےکا ای 
مگرزہوتا ےک ہا ںکو اگ رپہاڑی ماراجائےتودہ یپا شیاہوجائے اورووف رشن ا کو ا گرزسے ان شرح ار ےک (اس کے کت 
ْ لان ےکی آوان شرن سے مخرب تک تام مخلوقات تق گند اضا یں لے ور ارنے سد مد اراتا ہے 
ای گے بعد کرای کے اندرو ڈا لی ما" ا د الرداؤد) ۱ 
9 د ا ماد ایک لف سے جو ری یں دہشت زرواور حر سو ے کے ارد ک۷ ۷ئ 
١ا‏ جا تاے؛: مب یہ ےکس | وق تکاف را تاٹوف زدہہوجاتا ےکا کیئان یہت کی سے توف و صرت کے الفاظ ٹک یں 
ادرو جوا ب کی د ےا اوروہ کنا ےگ مم ںی ہاتا “ای کے اس جو اب پر ندرا ےب سے ا سک وجچھوناقرار دیاجامتا ہے ١ال‏ 
28 ےک وین اسلا مکی وازمشرق سے ےک رمخرب کک کی او رظ اسلام کا نے :ناشن چار انگ عام شی پھیلای او تما دنا ۳۲ 
۱ آائی وآ سال نہب سے باج ی۱ا کے باو جرا یکاہ ےہاک میس پک ھکیس جا زایا جج بے معلوم نس ود مرا مرک زب او ر موث ہے 
.۔ کر زاب کے جوفرخے معرر کے جات ہیں دہ اند ہے او زبہرے ہہوتے ہی ںہ ام ی کی ست ے کہ دوتو روہ کے کے چلا کے 
اوا یس او رنہ ای کے عال کو دک یں پر رکم ن ہآ کے ۔ ۲ ۱ 
ال ریک ے یک معوم و کہ مزب مرو کے ا دال ال تہ پ زاب دی ے شمر کے 
اوی ال کا امم ےک وہ نیا مز اب تیوک انکارکیاک رت تھا ور ا کو تلایا اگ رما تھا (تخوزہاش)۔ 


© زع غذمان رض الله نه له گان رذ رقف عَلی قب ټک حمی بل ځیه فيل ل رة وَالَار فلا ) 
اتیک وَتَبْکِی من هذا قان إن رَمٰزن الله ضلى الله عَليه وَحَلمْ قال 3 لمر اول م لرل مِنْ مَنازل الْأخرة فان 
جَابِنۂُفمَابعْدَهاَيْسَزمِنۂ وان لم بلح م ونه ما بغدة اض قال وَفانرَسُؤل الله صلی الل عليه مارات 
مراف الا وَاْقَيرَآَفَْكَْغبِنڈرَوَۂ مى واب مَاجَةَوَقَال اليِزمِدِیْ مُذَاحَبِیْث غريب 
اور تضرث تان کے باہش منقول ‏ ےک جب ووکسی قررکے پا کے وت تو(خوف فرا سے ایت ررروتے کا نکی 
(آنسکوںن) سے تر ہو جاکی اک س ہا یک ہآپ جب جقت اوردوز غکاؤکرکرت بتو یں روتے اور ول مل ہکھڑرے مور روتے ہیں 
ای کے جواب مس٤‏ انہوں نے کا اک مرتارددعالم پا نے فریایے :اخ تک ملوں یس سے خی مکی زل ہے لاس اک 
2 سے یات پال ان یکو ای ےب سای سے او ری نے ای ضزل سے چات تسن ا 7 کے بعد کٹ دشوا گی ے ` 
ضرت شان کت مہ ںکہآحضرت چ کے نرا “کہ سے" کول سے زیدہ ت یس رھدک اتناج اور 
تر ےہاک ے ریشب تا 
شرع :یی تر کے م وکر انان ئل وعشرت 88:071 9170711 ہے 
î‏ ہک دہوخوف قدا سے ات قل یکول رزاں پاتا ے او رآخرت سے اکا مسو ںکرج ہے نیزق میٹ و عشرت سے نفک رکی ہے اور 
نت ومشقت او رید ایم مرو ف سکاو ر کیا سب سے زر خت تج تچ 
0 لقال گان اَی صلی الله عليه سلمف فمن تی اب وف غلرہ َال نیرز یکم 
. سلوا له بلتِْتْتِ فالالا ن بال رد ابراؤں- ۱ 
”اور نضرت چنا e‏ 5 جب می تک رانا سے قار ہو سے کو تیر کے پا کھڑرے ہوک رز یں )ریا 


منظاہ ری دی > 146 ا ) فال 


20 رک ماگ تر بر تد‎ TET 
ونٹا ےسوا للیاجااے- ' (ارواؤء)‎ - 


و شر کیٹ سے ھام وک زنروںگ طرف ے مردو کے وا ت ارا اور میچ چا ال شید لماعت ۱ 
کاییسللےے۔ 
ہب د تھا ررد امت و ایا نے کیااک ینعی چٹ کے رکز و ھن می امن ے 
کہ ھی الح کے بیہاں شاب ت نی ہے لیک ں لشاف اور نیہ کے ٹر ری بے چنا چ دز نک کے کے ب تتقین میت کے 
ملس جس یک عدیت ؛لوامامہ کا کارب ات خ اض نے تع لوڈ یش طبرالی سے وک رکیاسے اور اجن مار این 
سا وروی ےیہک رکیا ےک ہآنحضرت کا ےا رشاو رای ج بن می س ےکوی اش کر جائے اور اسے دن نک چو تو ایک ٣‏ 
ٹس تر کے مرا کو اہو او بے اے فلا این فلا 'مرددیہ الفاظ تا ےلین جوا بیس رج وو وھ پچ ری سے ملاس امن 
فلاں” اس مج مرد ہا ے خر آپ پر مکرے :ارشاوڈیائے :لیک نتم ا سے نیس نت اس کے بعد ا ی سکوکہنا چاہینےہ اسے . 
فلاں! :ن کی کو رکرو شس پک اس دنا ے ھار سے اوروہ لا ال الا اللو انمحمڈاعبدۂورسوله کارت سے ن نم از 
راک وسک خړا گہارا یر وردکارے تر اتا ہار سے ای ی٠ا‏ سام اراو سے او رآ ناراد اہی رایام ےجب ےکی 
۱ لک گی سے اک ذو سر ےتھک تا کہ لوا ند یکے سا نے سے ارگوا اس سے بی ماس وکا رک وف رشن 
۱ اا کور یت ۱ ۱ 
اک کال نے ع سکیا ی سول ا اکر تد وکیا ہیں اور ام کی نس کس ططر فک ری آنحضرت 
را کال طرت ترون زو لان ینہ ) 
برقن بیت کے سال یی ال کے عفاود تی کے مررانےکھڑے ہوکر سوردقر کا ہ کون اور کن ہار سول سے ہت رسورت مم 
بڑھ نی تقول ہے اور اگ رقرآن شرف کو راڈ ھاجا ےتوبہ سب ے شل و بے لف علاء نےتوپہاں کیک فرایا ےک اروا ںی 
8 بھی مس کا وک رکیاجاتئے تو ؟ رگ فضیا تکاباعت اوررمت فداوندئی کے نزو ل کاسبب نوا 


9 وَعَن) ین سهد ال فال زشؤل الله صلی ال علج وسم یا على الگافر فن قبرہ غا نزن یٹ 


1 
جم سی 


ہیر سس حى ؤم السَاعَۂلزَا ِا ِنهَاتَفَخ فى الأزْضٍ ما لیت حرا رَوَاۂُالدَارِمِیُ وروی اليْزمِدیٔ. 

َحْوَهُوَقَالَ مَبکُز ون تشعةۇيشغۇن. ‏ 

”اور خضرت الو سیر کت ہی ںکہآنحضرت کا 0گ کے جا ہے ہیں جو نک 

رر رو ری یا رت پھر مر یرت ہر ا ھا دز 
بے :ار اور ری سے ا روات ت ول ے کن 2 یس بات نے کے اعد ہے 


لفل 0 
© عن جَاپ رق خرج ئاځ رشؤي الله صلی الله علي سای سعدن عاو نوی فَلفَصَلی صلی لله 
عليه وَسَلم وؤضغ فی قِرہ وسوی عَلَيْه سَبَخ سول الله صلی الله غَلیْه وَسَلمَ فَسيِخْتا لويلاز با یا 
دارمو للدم سحت شم کرت تفال ری بی بس جج | 


اروام ايآ 


ام کپ جر ٠ : AR‏ 07 


” شرت جار TTT STE‏ اہ ہی و Ê Tr‏ 
جاز وک ناز ڑم TE‏ یں نشی انال ڑج رے پھر 
آپ کا نے کی ران اک کی ہم ن ےبھی گب کیب رآحضرت پل سے لچک یاک ر سول ا آپ وڈ ان ے کنا کیوں وی 
ارچ ھکیو ںای قرا ای بد ساپ ا یک ترگ موی ی چرمدانے جار یا اھ 

a 2‏ و کے نرا کا خحضب رصت کل اورا کا شفقت شفقت شر پر ل جات او وال مقرل نمو کی پر ولت زی رتو ۱ 

7 ھت کے درواز ےکحول دج چا ے۔ 

ائھ کے نوف ورہشت کے موق ہیا نفک وای یی خب چ بتار 0) 
ای ہب ب نما جا ےکا اوروا اد یآفات وبا 7 تب نمداوندگی سے دور ہوا جا ےک 
٢ل‏ ون ابن غعُمَرَقَالَ قا ن وسل الله صلی الله علیہ وسلَم ها اَی رك له العو وفحت له اواب 
السماءِوَشهدة ب سَبْفزن الفا م امل نک ةلقد وة فر ج عله رہ نال 
”اور ضرت وین ر داو ہی کہ سرکارودھا ی نے ار شار قرا ای شش سد این میاق پوو تقل ہیں جن کے ے عون نے کی 

) ںا کی جب پاک روح ان ب کی تو ال عر نے خو کی ورت ہکا اہ رکیا) اور ان کے آسمان ےرہ اڑج ےکھو لے کے اور 
ان جنازے پرسشرجزارف ریت حا ہوئے اور انج کی ان شا دوو اور آحضرت Ê‏ ک کت سے اتکی نرکشارہ 
ہو ت 
© زغن شما نب ان نکر ڈنٹ ذم رون لمر صلی للع سمل خیلع فر وع ةقر لین زان ذب 
المزءفلمًاذ گر ذلك َج ا ا ۇن َج رو البخاریٌ هكد وراد لاني حال بيب ون أن فيم كلام 
زول الله صلی اله عَليدوَسَلمَقََم كث جهو فلت لجل قرب تن نناز 3 نهنك ماذاقال رنزن 
الله صلی اللَهُعَليْهِوَسَلمْفِیّ اجر قۆلقالقانقدأۇجى اَی الک ف عون فی ابو فرلمامَنۂ تتََاللُجَان۔ 
”اور ضفرت اسیا شت الج را وک ںکیہ ای و سرکار دو ام نے لہ کے کے ہوئے اودقی رکے پچ ہکا کر فا جس میس 
اتمالوں 7 جا ا چان ؛ بی کر ے مسملران(خوف زونہ وگررویے) ادر چلا کے رے؛ ب روات خا ر کے ونای اا 
اور ا نکیاہ چک قوف ویش تک دجہ سے )صلمانوں کے کے اور چلانے کے سب بش احفر ےن کے لتا اکر کی ) 
جب ے چنا علاتا ہیر ہوا تقو نے اپنے قریب بی ہوئے ای نس سے لوچا فد برکت عطافیاے ن تہارے عم سس 
زار ہو آ ںآ حشر کا ےکی ظایا؟) اس اھ ےہا آپ کی نے نراي پر نورت ۾ 
ڈو نے چاو گے نشین کبیا جاک ےگا اور ےآزرائش و اھان تر جال کے قرب قرب ہوگا_ * ۲ 

2 : مطلب ے ےکم نس طرح ت وار ری تی دب یادی اور نقصان و خسرا نکی بناء خت ملک تفر او راہ جوا 817 

ٰ رب نے ق ری ہول ددشت اور تی شت د اک بنا بہت زاره وناک بد گا ادا ھال سے دع انی اہ ےک ووالی او 

١ . f رک وٹ س یا رتست کے وروآزز ےتھول رے اور | کا ان داز نی میس اتر‎ ٢ 

© زخن جب رض لی صلی الله لی رَسلَم کن اذل لبم ولت لڈالشنش علد غ وب وبيهَایجلش ‏ 

۱ ط1 آے ری اور سق کی زی شان ساجزاری ترت زین وام گیا زوج ہو اور ضرت عبرا جن TE‏ ماشہ 

TIE‏ تان نہ سید و ا ٹس ر ااال انال را 


١ 


ظا رک جو ۱ ۱ ۸۹ ٦‏ ْ عم ال 


یمتح عَيَيم ويول دعر صلی (روہ ان اج ۱ : 
”اور رت جار داوگی ہی کے رکا ددعام کا SERE‏ اندر و نکر ریخا ےآو اک کے ساٹ ١‏ 
) ر بآ تب کووقت تی کیا اچاچ ہمد توں سے کو کوشا وھ شا او تا ج کے چوزد جم مھ 
۱ ای ااج . 
شر :پل مین مردہ زس وقت قجرہی رن 0+00 کر و سر لن الا مکی 1دا 7 
کر وت ےہ ویر ا کی کے پاک تبرش حاضرہوتے چ ںتودہ ۱ 
سوال وجواب ےیل ماراد اکر نے کے کہا س ہک کے ٹیس نرازم اوں ال کے نر یں جو یھ یکہناصطناہ کہو سنوی سوال وچوا ب 
کے بعد ہی الفاظکپتا ج اوردہ ی یا لگرت. 3ص 00 :اک کے ورو ساس کی سب سے مل 
۱ مازتی کی ے۔ ےا ت رواٹ ثعال بردلا لت 017 1 باود نود نشیس کی ے او ر وار ۱ کیویھھاے۔ ْ 
نین اود ٠٘‏ سک ناز دس ہوک ہوک تر گی صب ارت ےپ مازق | 
بادا ےتا 
ك ےم کے سا سے غرو بآ فا کا وقت شر ET‏ ین 
۱ کول سارک شی شام متا آووه را یل کنا یس چاو طرف کٹا ےک کہا جائوں او رکرو ؟ جو اہ شام 


تمریاں مشہورسے س 
اوزلف راشا وی د ار شر چان ) آلتیں ر ا ریا کئ روآ 
اور له ۱ ا 
نر ام خریاں جح آغالم . پرائے i‏ ا ر دازم 


© زع آپن مررۃ عَن ابي صلی الله عملم َل إن لمت نصیرالی القبر محش الژخْلُ فی قبروین _ 
غر 22 شۇپ مال فيم كنت فيفۇ ل گنت فی اللہ يقال ماهد ال جل فیقؤل محمد ر : لاله 
َء بالَِيناب من عند الله فصدة اة فيقاز لهل را ات اللهَفيقول ماب یلا خان یر ى الله فَْفَرَ حفر جةقبز 
فرش تی تخب یھ ارنف قن لتر فی م وفك لان شع افر جوز شرل زخری 
وا یه قاذم تَقَعڈل على الیقین کُب وَعَليْد يمت وَعَليهِثبَعَثْ ناء الله تَعَالى ولش الول السُوْء ْ 
فی قرِرِمَا مق َشْفوْبًا با يقال لک زیم كلت فيفزل لا آذرئ فيقان ماهد ازز دفول میٹ ھی رانو قرڈ ْ 

يفرح له فرجة قبل اجنو بطر إلى زهربها رما فيا يقال ارال اضرف الة عنك ا حرج 
إلى اا ِفَيْنکرالِيِھَايَحْطم بَعْصْيَابَفْسًا : Es‏ ہس بد وَعَلَيه مت وَعَایْوتبعَت إن شاآء الله 
n‏ 

۱ حضرت الو ہر 1 ت ت ا 6002 ا 270 2 2 2 پ, 7 

۱ می سیر سس ا ہوا چ رای سے لٹا جانا ےکی م ٠‏ 
کس زر ی ے؟ کے می دن ام تھا راس سے پوچھا جا ما ”ننس مھ کون ہیں ؟ "و وکا م١‏ پا 4 
دا ر سول یں جو قد اک پا سے ہار ہے لے کھلی وی یی کے اور بھم نے و نکی تا یگ پچ راس سے سوال کیا جات 


لامر جرد ٠ ۳" e‏ تئطر ال 


ےک کیام نے ایل کو وکیا ے؟ وہ جرا ب مج کا ےک ؛ قر ا نھان اوت وکوئی یں 2 و ارو شان 

: دوز کی طر فکھولا جا ا اور دو ازع کنا سے اور کے علو کو اس طرح ڑکا ہوا پا ہےکویا ا یک یس ایک دوسرےکوکھا . 
ری میں اور اک سے کہا چا تا ے اس چ زر خس سے ال نے نے پا یاے؛ چ راس کے گے ای کھٹڑکی جت کی ر ف کول ری بای 

وتز اور ا لک جو ںو رکھتاے چ رای س کہا جا ے: یہ ارا کات ے کوک ہار عار فوط اور اگل ) 
نہیں کال یی ور اشن و اغا داکی عالت دش تہارک دفات ول اور ا 1ہ و و0 000 ر 
الد تا نے جا اور فاریتر یق نرف زدواورکھبراا و اھ دک رتا سے میں1 سے ا جا ٣ے‏ 7 - یس چا؟ رہ ہاے : 
یس یس ھان ہر ای سے چا جانا سے کی تس خر ہنا )کون تے ”وم کپ ےش لوگو ںکوج و کے مایا بی می کہ تھا ای 

ک ےد ا کے ےش تک طرف یک روش دا نکھولا جا اے شس سے کشک تر دا اود ا کی چڑو ںکو وکا ےپ راس سے 
کھاجامناے١‏ اس جزل طرف دک سے خدانے تد سے پچ لیے چرس نے لے دوک طرف اکڑل کول ای ےا وروہ ہت ے 
گھ اک کر شعل ایک وور ےکولھارے ہیں۔ اور | کی سے باجا ہچ ترا کا ہا ہت بس می تو کا ھا اور ل 
) ار اود اک پر ٹھاا جا گا رش تھا ےچ“ ا 


بَابْا لاعْتضا٥بالکِتاب‏ اة 
کتاب وخ شف اعت رک رن گایان ۔. 


تاب ےم لاب اللہ 0-۰ ارآحضرت ا مو ممیت 
ام حدیث ےا 0 یت کے یں۔ | ۱ 
الفصْل الا ۰ 

0 عر عَالِشَة رض الله َعَالٰی عَْهَاقَالْتْ فان رول نال صلی اللُعَليوو لئآ اَخْدَثْفَِ‌آمْر امْافائیش _ 

هه فهر ر دفن می 

”اور خضرت عائشہ راڈ راو ہی ںکہ a‏ پٹ نے ا رش قراانس نے ہمارسے اس دجن می کوئی تالم ۔ 

ی نیس ہ اوہ مروو وہ )بغار و 
2 :من و ادان ہو تن ےکا مطلب یہہ ےکہ الک اعادو ان و ا 
لور ےن کے ساجھ چلنا اور ش ریت نے جو عد ون ا ر وک یں ان کے ائ ر راپ ہے اناد کے ا تھ رہ ای کش فلار و سارت کے . 
تی طرفے ای را سے بدا اک رناجوسرا سرخشاء راجت کے فلاف ہوں۔ ا لے فر ےے خا رر لے را سے سے الگ 
ہوں نہ رف کہ ائیانعد اعلقاوگی سب ےکی ڑورک ہے بل دوک ا لام کے بر قلاف گی ہے۔ 

چنا چ یں صدریت مل ان وگول ور دودقراردیا جار سے جرش اتی نفا خواہشمات اور ڈاگی اخرا ابتار رشرش نۓے 
سن ری را کرتے یں اورا اط اقو کا 1ن ساب شرا تک طر کر تے ہیں جن کا اسلام ین مس رمے سے وجودی کی میںہرتا۔ 

لاک ی ت دن یئن ےکر ڑ ے دوڑا تا سے اور ا یلیم کے ا ہچ ری پیک راہ کوت وا زع وحن سے 
لا اهاد اک نا سارہ سے متط آواسے مر دودقراردیا جا ےگا ہا میٹ کے الف یس منہ نے 


مقار جرد گے ٰ ٰ جلر اول 


۱ ا با تک طرف اشا کروی ےک ٹیچ بدا ےرا کن سے خوف را یہ ۳ 
ہوں ا کو موائیزہ نیس سے اوردہ ا کول تا کت ۱ 
ٰ © وَغٰ جاب قال ان شزل الله صلی اللهعَلَْهِد اَمَاتَهد فَاِن خی الْحَدِیْثِکِتَاب الله وير 00 
۱ مُحَمَدوَشْر المُؤرۂ مُحْدَثکهُاؤ کل بذعو ضادلة زرو 7 ۱ 
”اور رت جار ےا آنحضرت پاپ نے ؛ ایک خلب ںا رشاو راید بعد ازال جانناچا کہ بے شک سب سے ا 1 
انت ےسب ے کین راس می اما راہ سے او رسب سے ھ۶ را دہ سے" 30 وو ارت )اکال یا ہو درد شت (اپی 
رف ے دیہش پا ہوگ بات کرای ے۳۷ ٰ 1 
نع :ا :خضرت ہن نطب ارشماوفریارے ہوں کے چا چ سب سے پآ آپ ا 0ھ کچ رامالعد“ یی 
اڑا سک کرس عدنث اس طرخ رشا فیا ۔ 
۰ برعت ان جچزو ںک و کے ہیں جج نکاوجو ر حضرت پا 2 .9 . کے بعد تتاف زاوں شش دا 
بول ری ہیں۔ رع تک ورین ہیں ب رکٹ شی "اور رکٹ سب نہ ین اکر سی چ نکال ی ہیں جو اسلائی اصول دفو انکر کے 
مطافی ہوں ادر آن د عر یٹ کے قلاف نہ ہو لتو ا کوپ ر خت حت کے ہیں؛ اور جو چ ری خشاء شریجت کے بک اور ترآ و مر یف 
7 کے برخلاف ہوں ا کور ع سے کت یں او گیب رح کر فی انت او اھ کے رض لک ۴ر گی کاباعث ےا کہ جریف 
ل کلبدعةضلالة ےم ای حٹ یک ےا کپ ر عت نے امتا بطو رک ے۔ ' 0 
فک پاناجا الہ فیس ر عت لی ہیں جوواج ب؟ ھی ہیں شل مو J a‏ ما اکن ےا 2 
موار لوین کے لے عم محوم لیک رناضروکی ے۔ 1 " 
اک کے بر فلاف نی بر حمات ترام ہیں ماق ہے و ہے ہے با ہب اوران کے !کاو نیا 2000-0 نل , غلاف 
٦‏ نی ولک ان کے مر امہ کار رک را رکٹ و اجے ہے۔ 
یس پر عات تب مو کے خلت ا راودا مرف ہے لوک کو ہاور ر ابد سے ان کنا 
۱ اں ملمان و ںکودتی م ریت ا رح یی ام کنر ور کی ری کی لات شرورت وو اور 
۱ آحضرت پت کے زائ شیک مموتوونہ رل ہولں- ُ ْ 
ہے بزع ت کروم بھی ہیں خلا کلام الد اور مساحد پر ٹیو گار ڈوو و نک تین درک کے لے غیرمسنون رھ اخ 7 
ضر ع ریا بھی ہیں ج ےمج کے ہو ز اہک :این ایام شا کا ہب ے فی کے بہا کی کے بع کیا یکر اکرومے۔ ٠‏ 
۱ پر خت کے ساسا یس اعام شای ےا ر ۔کاہے ٠وہ‏ فریاے میں جوف بات یراک جائے گت برع ت کرد وناب کے الف ْ 
می ہہ کے اتال کے متا اور اما قت کے نس تو ضلالت 7 و ت2 
© خی ان عام ان قال سول الله صلی عليه وسم ابق الاس إلى اللٰادِنَڈمْْجد فی الحرم ومنغ 
) فی الالام سَة سالجا ةومللب داف ری ءلم بغي ر حَق له ريق دہ ردد افارل. 
"اور تحضبرت ابن ۴یا ی PT OPIN‏ 
کت رای ہے )کن زی © رمش اروگ اکر نے دالا ۱۲ لام یش ایام چا لیت کے طریتوں وعو ڑ ھۓ والا۔ 0 سی سان 
کے تون یکا ب کرجا ای کے ولوپا کے کار ١ ٠ ٠‏ 


چیو ھا 


قاری جد ۱ ۱ AF‏ تی 2۹٠0-0‏ لد اقل 
۱ نر ١‏ کی میٹ ں ت یآرہوں اک وخر کے تزویک سب ے یرہ تانر رہ ادر حفرب قرا ر دیا ھار ا ے٢‏ ہلا ت آووہ سے کے فیا 
نے کرت ایی مار کی اد زیت لک مت کے زی وس مر جن ےک 
کرتا ہے کک وہ حرف ح کرو یکرت ہے لی سی جن اتی رکا ےجو ایک طرف تو اس مقر کہ کی شان شرت کے منائی ہیں اور 
دو ری طرف اجکام شر کی کی فلاف ذرزک کے متراوف ہیں یں لی ر کر ارک رناء کو ئی کی گناہ ورقاتوں - 
ش ری کی ظا درز پرا ۱ : 
) وو را اک کو ود ااا ا سا 07 سس کے جب رن نو رھ کی سے مو گر" اسیا : 
۱ یس ان چزو ںکو اتارک ے جو مالس زرمانہ اہی ت کا ریت اور خی اسلائی رکس یں کے نوج کرنا یا صاب و مکاایف کے وقت 
ا کرس اشن لیا اور نود زگ رنہ یا کی ر لکر ٹاچ ھا کف ری علا مت ول کے اولیاء ابش کے زار عر کرک 
وال چ اال قروں پر اش یکا نظ مک رہ خی ال کے نام رونا زکرم وشپ رات یش نی وراک ال وید خی . 
) را نے جوسی سلا ن کان ر8 تون ہے کا طب گار ہو یی کسی سان 7 1 کر ایر تخس ٹون ری ہد او رکو 
رو سرا حرش موا رھ رش یم یکول چو انرم می سے ایا ڈگ دمید کربب متقصدصرف خون د بآرم رید 


) تین او رزیاددقائل نفر ہو جا تے۔ 
اس سپ انماس کر یں .7 رش کیٹا اورطب یا ا اج ےتا 2م کوک کنا را سیکا ان 
تون ہاو یپا سنا ڑا چم چ وکا اور ا لک ی کے مزا ُٰ 


71 یپٰھٰ وَسَلمْ یز ەلى تومن 
قان 7ء تن عص انی ایرد غارگ) ٠‏ 
”اور ترت الور راو کیہ را رووا مت ےار شافرایا یقت جت سر یرد ہش می نے اتا کیا اور : 
ہش یی ود جات می داخ ل نیس ہگ کچھ یی کیا ”وکو نآ سے جک نے اکا کیا اور نش کی" آب اتا نے رای ت ٹس نے ) 
برک اطا عت ذقانیرداریکی وو جقت یش رال ہا اور تی سے یی قرا کا ےار ود ری“ ار( ٠‏ 
ارم ظا نے آب ہلا سے اوج اک قول کے وال اور نشی اتا نے دال کون ے؟؟ خضرت و ے وضاح تفال 
کہ سے می اکت یکا ور یر اغام وڈان سے ودای ود مرش ے جن کا شی کک ا راد 
اف کی نار داکے عذراب کا سوچ بلرراناچا ےگا۔ 
@ وَعن جَاہ فَالِ جَاءٹ مَلايِكَة إلى ہن صلی الله عليه وسم وهو تاز لزا شاحِِکْمهل تق 
فَاضْر ئۇالە لقان مه نمو قال بنْضهُم إنَالعين ةراب يفا لاله َمل رَجُ لی ڈازا . 
ُٰ وَجَعَل فِهَامَاهُبَةوََعَتٌ عك دافن أَجَاب الذُاجی َل الذار وَل هن المَدبةِر ملم یُجب الداع نيحل 
الَا ولم يأل من اة اؤ ولوا بف4ا قا بهم يورال بغطهم ئ ا ي َة وَالْقَلَٰ 
مظان فُقَالوا الذَار ْج والذاعن مُحَمَة فَمَنْ آطاع مُحَمدا e‏ 
۱ وشحَمَفرقّيبن الداس- :لغار - 
”اور ضضرت جار فریابے ہی ںکیہ )فر آرت Ê‏ پاک اک وق تآمهج بک ہآپ 5 سور سے کے فرشتوں نے میں 
کہا ہار سے اس دوس ت ی خضرت پا ےا ایک شال سے الکو ان کے سان یا کرد دوسرےفرشتول ا ےہا ون 
رر رہ کے بت سے 


ORF 0"‏ ۱ پر ال 


ماہ اتکی ال ا شک کی ے نخس تن ےکھرنایا اورلوگوں کےکھاناکھانے کے لے دسترخوان چنا او ربچ روو ںکوبلائے کے ےآ یی 
کیال زا یں نے بلانے وا ث ےکی با تکو مان لیا وہ کر داش چ رکا او رکھا ھا ےگا اور نس نے بلا کے دا ل ےکی با تککوقبول ‏ کیاوہز 
ریس دا ی ج وکا اور ماتا لھا گے نکر قرشتوں ن ےکچ می کہ اک لیکو( دماح ت کے سنا ھ) با کر وکاک یہ ا سے کی :ی 
ر حون کہا ہات 0۰ تو وس ہو کے ہیں دو رول سے ہا ہے تی ف a‏ ری ہیں کن دل تو پاآیاے ۱ 
اور کچھ کہا کے عر رتو جت ہے اور بلانے دونے سے رازھ ک2 ہیں ر نے ر کک کی فر انہر یکی نے ا تیا کی 
٣‏ س روا ری کی او ری نے ر کین فیا یکا ی سے اند تما کی ناقرا کاو ر گر کک لوکگوں کے وران فن اروا E‏ 
٠ ۱ ْ‏ ۱ ا : زار ) 
تر سکیس سے مرا وی نے دک ابا اور دست روان چنا اللہ تا کی زات ے ای رح دسترخوالن او کیا کے سے مرو وش تکی 
فیس موس ول تا ہی طور یر مفہوم ہور ہے ہیں ا لے ال نکی وضاحت نی یی کن با یکا ےک ہآمحضرت کا زات 
کر ا یلولو ں کے رر مان ر کے والی ےکی کافر و کنا وا لاوز ماوق شاپ پاپ خر لے دا لئے ڑں۔ 
© وع ائ قان جَاءكَنهُرَط إلى زواج اَي صَلّی اللهُعَلَيه و سملاو عَ عة ايى صلی الله عليه 
وَسَلَم فما پرا بها انهم الها فار ين حن من اللہ صلی الله عليه وْسَلم وقد عفر اللَلَهمَاتقدممن 
دلب وها تأر فَقَانَ اَحَدُمُم َع اتا فَأَصَلَی اليل ابا وقال الخ آنا اَصْزم الٹھاز ابد ولا أفطروقان الآخر اا 
آمْتز ل َء فاد ترۇج بدا فجاء اللنْ صلی اللهُعَلَیْهَسَلم اَی فقا اشم الذِيْن فُلتْمْ ذاو گذا االله انی 
لاحش اکم لله وَاَفاکُْلَهلکئی اَسْوْمواَفطروَصَلِی وَأرقدوَاَتَززَحالِسَاءَفمَن رب عَن تی فلص متي 
ا ) نعل 
ف حقضرت ال 7 21 4 اس محشرت پان کی واو ںکی یر مت شس حاض ورک اہ ان سے آفحضرت ٹن کی عبار تکاحال 
دریاف کر ی» جب ان لوگو ں کو آپ ملا کی عار ت کا جال جلا یا تو اہول نے پک عباو تک وم خیا لکر کے آجں ںکہا۔ 
خضت نت کے ابر ج مکیا یں اش تما لی ےآو ان کے ۲ کے کے سار ےکمناہ معا فکمردیے یں ان ایل سے ایک ےہا 
اپ مل کیش ار رات غار ھا اکرو ارو ہے نے اا ورش ون کوش روزد رکھا ارت گا درب افطار گرو ںگا۔تسرے نے 
کیان خحورتوں سے الک ہوا کا او بھی اح رکرو ںاہ ال ناش آچ یں ہیں ے شک پوتی ری 71 آنحضرت چ ریف ےآے 
۱ اور فرمایا م لوگوں نے ایا ول ا کپاے؛ خردا رای تم سے زیادہ غرا سے رتا ہوں+اورتم ے زیر قوی خی رک رتاہوں کن اس کے 
وچو شای روز ی رکا ہوں ۱ در افطا رگ یکرتا ہوں میں(رات مل )ما زی خڑھتاہہوں اورا ی ہوں اور کو رآوں سے کا بی کرجا . 
ہو ں ےک می راع اہ ازو میرے طریقہ سے ا ۶را فک رس ےکاو ہک ہے ا( ن یرک جنماعت سے فار چ“ 
Pa 2 ۱ ۱ ٠‏ 
2 ین ای یی حضرت ی حطضرت مان بن حول وور حضرت ہاش گن روا ازوا مرو تکی یرت گل 
آحضرت پل کی عاو ت کا ال معلو مکرنے کے لے حاض رہوئے جب ان لولو ںک و آب پل کی عبار ت کا مال معلوم مرا آو سے 
۱ نہوں ن ےگ خیا ل کر ے ہو ےکہا ان کہا ں او رکال ر سول اتر جن بین عبات کے مایا یس بیس س رار روا ٣‏ و زات 
ارس س ےکی نیت ؟ اس لم ےک ہآ یی کو تو ای بھی عباز تکی ما جت یں کیو آپ چنا سرا موم اور مخفو ر یں 
Î.‏ ھت تام تادا راہ اریت ٹیس سے لی بے گے درو چا ا ارشاررلٰٛے۔ | 


رق بے ۹۸۳ ٣ hy.‏ 1ھ 


لِغْفر لَك اللَدَاتَقَتمَمِن ذَلبكَ ماتاخی. 
PP -<‏ کین تام کن کے“ 
چانچ ون تیر نے صب غیت ایی ایی جروا سے اوی لاز مک رلیا ہے خیال کاک بارت ٹیل !تی زارف عرفا ن یکایاعث اور 
قرب الائ کاواحدذ لیے نی نآنحضرت لی نے ایس اس ےہار اس ےک کارت ونی ت او رقائل تین موی جوخرا 
اور ضرا کے رمو لکی ا مکردہ عرو کے اندرہو او کی عبات کے لئے ند کوک فک گیا س اتی عبات ہیا قرب الی ار ہکا عت 
وی چنا آپ r‏ نے فا اک یٹ سک سے زیادەڈرتہوں ویک ے زیاددا ختیا رک ہو سے ہہوں :وف خدامورے ول می مم ے 
) ریا دو مان | غ اس کے اوور بھی می ری عبات او می ٹیر یات ال نایا مہ ورک اد ر ےجوخ را ےق ا کروی سے کیا لئے میں روزے 
یرتا چول اور اکتا چون ا گی ھتاہوں اور سونے کے وقت موت گی ہوں اورقا سے فطرت ور آوں a‏ 
رتا موں_ ۱ 
چان ہکمال اضانیت کی ےک برد تلان ے حن رکے۔ عورتوں سے فا ؟ کر و رت لک افو 
نے و اوررو مہ بی طرف ق اٹ کی فرق نہ آئے اور روک کاو کن مات سے چو ے کاچ 
خضرت ڈو نے پر ےکال کے ہا کی حیقیت سے ونا کے سا نے ج RIS‏ اک طریقہ کے ٠‏ 
اور پآ کل آپ کے ےے صاف ور پر اطا فرمادیا کے ی را راہ سے اور کی میرک حفت؛ اب جو میری حتت سے 
انح را کر ہے میری جا مو جدود سے اوک رتا ا کامطلب یہہ وگ کے وو ری ت او ر ہے ریہ سے مزا رک و ےر کی 
را تہ یہ ےکہ ای٠‏ میرک جماعت سے فار ہے اسے کے اورمیئی جما عت ےکوی لسم نہیں _ ٣‏ 
ای ارشا ر نے ای طرف کی اشا ر کرو اکہ ماران رت ے کل منہ موڑینا اور جراشیتکاط وق اختی رک لیا ھار ے ای لے 
کرای سن صرف ےک اضائیٰ زنک یکاشیرازہ ترجا ۓگابکہ وی ایک اد شی سک یکی ہی او رعباوتکاج اس یی ہے وہ ۱ 
ادال مر 
حضرتدمولانا شام ٹر اھا کے فر کہ اس عدریث سے ٹف علاء نے ی اشن کیا ےک انل میٹ شی ان اوکوں م کرو 
ہے جوبدیحعت حم کے تال میں ۔ کی کک کو کیا نے جن چو کیاد لاز کر نےےکا اراو اداه بارت یک کر میں 
ین کک شی کے طروت کے خلاف اور اس ے زیا ہیں لے آحضت ا ےا وت ر یں رای اور ای ےت رار 
زا او یک ہےکہ جوعباو تآں حضرت پا سے معقول ہو :او رت طرع شابت ہو کی رع اواکرے اس شی اپ طرف ےکی 
0927٦‏ 
ےا وَعَْ عَابِشَةفَانَ صَنَع ره 0صص<-+17 
صلی اللَهُعَلَيْهِوَسَلم فب فحَمدالل' قان سئتے ‏ ھر وج پیٹ 
َاَشَتمْوْلَحَشْيَةً نمي 
”اور رتا صرق یا ہی ںآہ سرکارد دنام ê‏ ےت سے ٣‏ 
٠‏ کیاج بآنحضرت کا کوے ری لواب پاپ نے خط ری دورخداکی ر نیف کے بد فریا یات آولوں کیا عال ہے کے دہ اک چڑے . 
برک زکرے روس روفاک انا تاک میدن مو ا چاتیاہولئ اور انات ارہ ترا سے ڈرتا 
ہوں۔' ارک" (FS‏ 


ار مت 144 ٰ لر ال 


| ن0 :روزہ لآ حضرت E‏ کے ای وی کال وس لیا ہوگانا اشر روژو د رکھاہ وکا وت الع نع چزول ا از ت ے اور رلچٹ نے 
اک رصت وک ے ایا آنحضرت کو نے خور یں پ کی فر زوزںنّی د اکر ع یں 
ین یھ لوگوں نے ائرراہا اط ا کو ہار ھام وک جب ؟ آحضرت ہلت کو ا اعم ہوا تو آپ پا نے اس ہنا رای کا ایا رقہایا 
ادرقرا کے اک کے باوجو دک شس لوول سے زیارہ قرا سے ڈرتاہول او رکال اغلا میرے اندر موجود ے لیکن مس ریو کی طرف ے 
دیآ ہا اور رخص ت پیم لکرتاہو ںتودولو کون ہوئے ہیں جو ای رخص ت و اجازت کل 2دکری۔ - 
) عو تیت ےا تول ار خص تک تت پک چا ےجو اتید گی ںتو اس مںڑی | 
یی یں تر ںی _ ما شای کہ ابیے موا ر درل تہ کے رونا ھا رگ او روف نشی ت تر فاہیت شک اظمار ہوا ے ورا 
کے نز دی بہت محیوب سے سے اکی لے مرکا رو وتام پل کا ارشا کرای ےک اللہ ا سے بین دک رجا ےکر خمتوں جآ سانیوں کل 
کیا جا جیساکہ دہ ۶ی توں ]شی اول چوں پل کے چان کون کرجا ہا ۱ 
(۸) وَعَنْ زافع بن خَدِیٔج قال دم يج الله لی الله عليه نَم دة وهم ژرزن اُخل قال ماتضتغؤن 
قال کا تع قان لَعَلكُم لزنم هعلو گان جيرا رکز قب قال فذ کروا ذلك له فَقَان اک انا شر اذا 
رگم شمن ْردِیْکُهفَخُدُوْا ہو ودا رکھب یمر رب فالمآ نا بشو (روم م 
: و ین ر یا نکر تتے ہیںکہ(جب سرکار ددعم کک لے شرف لا وکت ہے کت E‏ 
میس تاب کیا کر کے کے حضرت E‏ نے ا دی کر رای ےکی کے ہی ؟ اال نے کیا ایا ی کرت رسے ہیں یں 
حضرت چا کے راا وک کم وا نکر وو شا ترمو چنا چ لوول نے پ پیا کا ارشا وکر اسے چھواروی اور اس سال کیل لک 
یراو کے ہی ںکہ ا کاجکر خضت پل سےکیاکیا آپ پل نے فا بای کی ای فآ دی ہوں لیذ اجب می ہس ی ای جز 
ام دو جو ہے کا ترا قو لکا یکیاد ےس6 و ںوھ لوک می کی انان ہوں_“ 
ا 
سر 
227ھ :کو رکےورضنوں رش ایک درخحنت؟ مر و ہوااے اوردو سہرے ارو سے 2 کرت تج کہ مرد رن تک ول مادہ 
درختوں ے جھاڑر ئے با ان یس لگا ری تھے اس ہے ا کاخیال تھ کہ ئل زیر ہآ کے ںہ یکو چ کر کہا جا تاے؛ آخر مد یش ٹیل 
خضرت 8 ہے آئ تاا سی لہ شس کی اک انان ہوں رٹاو ی اساب کے ساسلہ شل تھے خلا ا کی وی یا 
۰ دخیاوگی محالمہ یس اپ ای انی اجمادئی را کا تھا رکرو جودٹی کے رکم ہوقو اس کل کر ضور یآ سے امہ اس موامہ 
س آپ E‏ نے جب دی اک یہ ڑا مور حا یت شی سے ے اور اک لک اتا چو لک کی وتار رک عقو ل نظ فی ں کی اور ای 
تیال س فا اک شای ا کات کے مخینب انل ی سے مول ہو اس لئآ اپ کا ےا کو کر و کے ے فر اک م 
ہںزیلي وبا لگ یگ لمکررلترگ۔ ٠‏ 
پٹپ ب ریہ کے ب دآپ ا ات 2 ت لت تک پھلو ںکیادوورشت میس کار تج یں تو 
لیے کرت سےآے ہیں اور ا سا رفظ وت ات ین کی ےلوآپ جا کے سلوت فریایاں 
ے عدریث اکس بر ولال کر فی ےک ہآنحضرت پٹ کودزای طرف الات ن تھا اور ےپ سے 
از ےھر سر مس شر کوزیار ہام قمام تھا 


شارخ جن خسار لوک ہیں نس وقت تع و ای کے ر رمان بک رر ہولی ان وقت TTT‏ ٰ 
اسر ااب 


ظا ر تیار ما : hh‏ ) ہلر اڑل 


اا ٹیس ای وات کے رہ سس آے ہی ںکہ آپ کن فا انتم‌اعلم‌باموردنیاکم 
یم و کون کے امو رکوشوب چا ہوا طالب کی کیا سے کہ وتیا زیا مورک طرف بے الات ت کیل ہے ورد چہاں تک رائے 
وکا حاط ہے ال شی ذرہ برا ھی شیہ یس ہےآلحضرت پل دی آوردنیاوئی رولوں معللات کل سب سے زیارہ مټرو. 
صا اآراے ےہ ۱ 
0 عن اين ۇمى قان قان ۇل الل لی الله عَلَوَسَتمَنمَامََلیٰ مكل تاققیی الل به كمل رَجُل آلی 
وما فان با قم ات زآِ الجَذس بعیق وان ان الت العزيَان فالتَجَاءَالتْجَاءَ فطاع طازفة کت ۱ 
افوا على مهلم فَجُزا وجب فة منم فَاَسْبِخُزا اتهم فَسْبَحَهُم الْجَيش فَأَهلْكهُم و اتا 
قذالكمتل م من اظاغین فاع ما جب په عمل فن عصان وَكَذبَ مَاجل به من الح ن عي 
"اور ضرت الو مو راوگ چ کن سرکارووعائم ڑا کے ار شار فر ایا یرک ادر ال چچزکی شال ے و ےکر غا کے کے یراس ری 
رل ورات )ای کیک ےجو ایک توم کے پا گآیا او کہا دے وای کے ایآ اون نے ایک اشک کچھاے اد رش گار نے 
ی )اڈ را کے دالا ہوں لام ای نچا تکو حلا یکرو چنا ا کی تو کی ایک جماعتنے ال کی فان نار لک اور الول رات 7 ا 
آم لاور جات ال ان ٹن سے ای گر دن ےا کو جا یو ا تک ان ےگھروں ربا کو شکرنے اکر اوی لیا وو ملاک 
گرڑالازیبان کہا ا نکی جد ںکھورڈایس شیا نک نسل مت کن کروی اچ شال نے ا لنٹ کش نے میرک فا داری ۱ 
در ج امش لایاہو ال نکی دی کی اور ای شک بھی بی شال ے فو یٹپ شی رین دشریعت) 
ٹیش ل ےک آیاہہوں سی ا ار af‏ ' 
۱ تش0 ہے واک کل ی سک عرب کش اعد تاک ج بکوئی شف کسی ل رک ری قم ہحمل کے لے ہوا رتا تو 
کپڑے اما رک رص ر سر رک پیا اور پالئل کم کر چلا اموا فقوم طرف ا بک اوک خرداو جا یں اور نکیا چک آبدے پچاؤکیشکل 
پا لس اک الوا ڑرات وا کہا جا تا تيء ی کے بعد ے ےکی ای اور شواک ماوت کے یآ نے س صرف اک شري 
شیب ںیا 2 
ا AN ê‏ ساد ق تپ پا 98177 
اور نار رار رش جا کٹ توخ دا زاو قب رر ین ہیی ئل ج تے۔ 
9( رن ان هُرْزة ا قال َون الله صلی الل علد وسم کل قل جل رد مد راق ااذ 
عاحَولَها َل لراش وهه ادوب اتن فع فى اَن فبا وجل جز جره و فة ققحن فيه انا 
اذ حجر گم عن اا الخ تقكَمُنَفِيْھَا هذه رواية البْخَارِيِ لم تخزغا و فن أجرا قل با 
لمکم آنا جذ بج زم عن اكارهَلَمعَنٍ اهلمعن ار فتغلونن قحم مون فها فن عي | 
”اور ضرت الوہررہ ڈ راوگ ہی کہ سار روم پان ےے ارشماوفیااہ میرئی ال اک مانخد ہے جن ن ےکک روش نک چان 
ج بآ نے چاروں طرف روک یلا توپردانے ادرددسرے وہ افو جک مج گرتے ہیں ہک رگ می کر نے ےگ روشن 
کے وا ےش نے ا یکو رکاش رور کاک وہ زی رک کک ا لک کوٹ شمشوں )غالب رے ہیں ادرک شی لک شی تے ی اکا 
رب شی بھی ہار ی ری کر کر اک می ںکرنے سے روکھاہوں اد ٹم آ2 ا بت 
ہے روات ناز یکیے او لم یس کی ایک ی وای ے الہ سلھکی روایت کے انر ی الطاظ ے یں آحضرت کی نے کہا کے 
تی سب شی ہش تھے 


مہ رن مد سر ۱ ۹4 | ) جلر ال 
طرف اؤ ووزغ سے بیو ری طر فآولیکن مھ غا بآتے ہو اوک گرڈ تے ہو۔ ری ملق 


227 انت کالپ ی جک شنے اوخ چو ہے مات کو کو لکریا کر دنین جس 
لر لوی تآ جلا سے اور افش کے روک کے باوجودی وا ےگ بی کر تے ہیں وخر اک طرح باوجودیکہ ٣‏ نہیں برے 
را ست سے بنا اہول اور بر ےکام سے ر اہول ین مال خرپاو رگرپر وہ چہرں e‏ 1 اضر دو نکی می لر 
لج " 
© وَغَنْ آبی مُزسٰی قان قان رَسُزل زی اللہ شی اله عه وسم ر انان الله و ین الى ولجم كمقر 
قيب لكر صاب اَزضا كانت مھا ظالفةً ية قبت الْماء أبعت لكلا وَالْعْسْبَ کُر وَكکائٹ مِٹھا 
جاب سكت المَاء قق اللهيها الاس رؤا وَمَقَوا و ررَعُوا َاَصَاب ينها فة رى إلا هى قيعان ا 
تفسكڭمَاءَوَلانبتُ تفلا مقلم فة فی داتعم بعكنى الله كلم عنم تلفغ بذيلة ) 
راسا هيقل هُدیالله لَِأُرْسِلبُ NT‏ 
اور نطرت الو موی ٠‏ ہی کہ رر ر وعم ا ALD GRE‏ 
ایتک یارش کی ات سے جو زین مول چا زشین کے ا ےک ے نے ہے قو لک ر پاش این ابر رہز بک رلیا: اور گی کے بہت 
زیادہ شیک وہ ری عا یہد امو اور می ن کا ی کی کت تھا گے اس کے اوی ای کیا اش ےا ی ے E‏ می مایا ادر 
و نے اسے پا ند پیا ور کوسیرا بک و رش الین ےی کے کرای جو یل مخت میدان انال 
نے پا کور وکا اور ھا کو ایاڑا ہے سب( کورو ایس ) ا لنشح کی ای ہے جس نے خداکے دی نک و چھا در و اتا نے ۱ 
میرک و اط سے مھ ی اس نے اس سح نف اھا یں الس نے خو و کم ورو دصرو ںکوسکھایاہ او رآ ں تح سکی شال سے بس نے خدا ۱ 
کے وک کو کے کے یری وج سے سکیس ھا ادر غد انال کی ارچ ہے رو ہت یی کی تول سکیل ٠‏ و لم 
تر ال E E EA E‏ 
رع شا زکود شاو ری یا نکی ےشن ایس تد جیا سے فادہا ےہ وو سے د جا ےکر لفن 
) اھان کی قاروا اوا اد یں میں ایک اکا کے وای اوددد حراش ا گائےوال۔ 
کیک ای رح عم وین سے“ ”امہ اجھانے وا ئے دو رح کے ہو کے جس ٭ کلاوہ ھن جوعل بھی ہو او عابروفیہ او مبھی۔ 
یں پر کے کٹ ےکی شای صاوق کی سے جم سے ارچ ہز بکر وکیا اود دو روں اوی ا 
کا بھی اکا ۔ اکی رح ا ننس نب تہ نین سے ےآ ودای قاکر ١ا‏ ٹھاا اوردوسرو کو کی نے مم ے تق سکیا۔ دو سنٹف 
) ے جوعائم لم ہوگرعابر وققہ نہ ہوہ نود ول وغیہ یش خو ہوا اورت اک نے نے م خی ق لی کچھ لوتہ پاک ال کی 
شال زشن کے اس ححق کی اتر ے جس میں پان ب وکیا اورلوگوں نے اک سے فائدہاٹھاا۔ با یرش کاو جضت ی تے پا یکو زب 
۱ یکیا او رکھواس اکال دہ ری کی شال کے جنہوں نے علم کل کا :کچ یہت سے ما یکا ا نم کیا اس سے ووی ہو ئے 
ادرو وسرو لک وی فائرہ ھا 
او زین کے اس تی لی زس ماپا شوہ مین ہی ںکہانہوں نے عم ریت لکیا اور اکم وایند ہے 
و اووں کی یوی ان رولوں کے مقاب میس * یس وس ود نے ارا رورو کشا کے دی کے سا نے اٹ مرو نو یس کان ائے 
ال نے مور کی طر کول تچ الا ت کی اورت ای سے خداوداکے رسول کے امموس اورت ا برک لکیا ورد کم کروی 
سس اب پاچ پہ دنا ری شلوا شی ماد اوی کک کی نے الکو لکرس 


سام جس یار بار ) ۱ ٤‏ ۹۸ ۱ ۲ ) جلر اڑل 
نے اندرجذبپ یا ایکوش کیا اور گے 
© زع عَاَةَقالڭ تلاز مول اللوصلى اللَُعَلَیه وَسلمْ رہ رڈ 
قرا الى "يكر ولو الاب ”فَالَےْ قَالَ رَسُؤل اللوصلى اللَهُءَ عليه ولم قاذًازآێت- وعند شل زایٹم 
لن یَقبعُوْنَمَانَشَابَةمنەفاو اك الین سَمَامُؤ اللَهْخلَر وشم ون لے ال ران ے؛ 
لاوز رت ماش را ہی کہ ق خضرت نے نے آیت طلاوت فمائی الارن عَلَيلكالْكَناب مله انكمت 
مرج :دہ( نے کس ت ےآپ نت تاب :از لکیک ںی آیات تم ہیں۔اورآخرآبت و مایڈکرالا ولو الاب : 
00 ھ۶9"ھ ل تی حطر ت عا ی ہی ںکہ یت شر کر آنحضرت پچ فراش 
وق تآو وھ او رس مکی روایت می ے ' تج مم وجو لہ او دہ یو کے چچ پ سے یلج تھ ی ںو دک ارہل یں ) 


سی ےج ج 


ہی کا نام او تیا سے( ر 7 دارکھاے ہنا ان لوگوں سے '' بفارئی کم ) 
ش0 تکایقیہ ہے سے 
ملكتب اتشيه فان لذن فى قزم زنع فزن ماقا , نة لیفاه انيا ال و ) 
عام اويه A IP‏ زاس نز فی الم اہ لن عند رجا مَايَ را رر لباب ١ال‏ تن نے 


”اور ویآ إت یات )ی کناب یل اور تی نل جن کے ولو س“ پور 
یں تاکیہ فقد ریا کر اود ھراو اک یکاتہ ای الاک مراد کی خا سے سواکو یں اتا اور جو لوک علم دای واک ی رھت یں وہ یہ 
گے مہ کہ مم انی اا ن لا یہ سب تار سے پر ور وکا ری طرف ے ںاور کیت تو ری تو لکرئے ہیں۔ ' 
اس عررٹف سے معلوم ہو ا کہ جو لوگ آیات مشابہیات کے چے ہے ہیں اور ا نکی ایل مر کو انے کے کے انیل کے 
وی ا الْذِیْنْفِیْفَلزْبهھِمْزیْم سے معلوم اہ ۱ 
اک لیے ےک رآ نک رم شس دوطر کی یں نی اول ”ایت لمات ' '۔ ووا ت مس نس کے کی و مطلب یاچ رمو تے ںان 
ںا ناء و ایام یں ہوم دو سر یآ بات ظا ییات ہیں فی جن ےک فار ہوتے ب نکی گی مرا وکا صرف ال تھا کا 
چت دز اون - 
لزا جولو یک اور صا اہول n‏ کرات کے 
می ومطال بک جح ت٢‏ ھی میں اور ان يہ اکان 721 ںاو ریات تم شا مات پر رک سورد انان کے اھ امان اکر لن کے 7 
ماب او کی مرا دک ایگ سیر کرد سے ہی کیہ وی پچ پا ۓ والے۔ ۱ ۱ 
٠‏ کن ین لوکوں کے تلو ب می می وک ہے او رشن کے ا کر سے ہیں وہ آیات منشاہمات کے شی جاتے یا ور ان میں تی 
ا توو یراہ ہو کے یش اور ووسرو او یکر اہکرتے ہیں ال ع یٹ ادر ہکورہ مال آیات ش ریف کایی 
تیا | کے او ر+طاب ے۔ ) 
© زغن عبدالل ې غفروقال فخزث إلى زشزں اللہ ضلی الله عليه ولم توما فا قمع اَصْوَات رَجْليْنٍ 
إختلفا فی أب فحرحّ عَلیْنا رَسٰزل سس وی سس تر 
ہر سج ج کے 7- 


اور حشرت یداش جن کرو راو ہی کے رکا وویم ا کی ت رمت مین حا یہوا: حشرت عر اٹہ فر کے ہی ںکہآنحشرت اتا 
ےے دو آومیو کی آوازیی ین ایس (نتتشابہ) آیت جس اشلا فکررسے کے یھی ای کے یں زر ے تھے ہں حضرت کی 
مار ے درمیان شرف لائے(ائس وقت)آپ پان کے چرم رک ی فص ک ےجا فایاں ے ۔آپ 8# نے قمایاء تم سے کی کے 
لو ابی خواظا ذ نک ا رت لس 


شر ای سے راد وہ اختلاف ےہ سک وج سےقلوب پک می کر شار ہوں :یا دیمان شی لک ورک ہر اہو او لچ سخ وقماد اور 
وی کاسجب فر وہر غ کا پا عت ہی نے تس قرآن مس اتا یک رنہ ای کے کن وعطااب میس فرق س ارتا ظاہ ر ےک الن تچڑوں 
یں نہ تو تیاو ہار ے اور اتا فک رباع سے پال علائے ہم کین کے ا لاف ہیں جو خداکی رم کا اح او رون وش رت یش 
و عم کا ز رنج میں نا کی سحابہ سے اس رک ای لاف جاتر تول سج چا تا اور ک وہہ سے بے ار 
) مسا ل کا تماما ہوا اور امت ان ے نم ہیں 
0 ُعَنْ سَغدِیْنِ ابی رفا ص قال قال رَسُزْل للرملی الل تيوسام ناكم ال لمي فی المُشلمين جرف 
ق مأل عن شىء رم على الاس فَخرَممن آخل مشاليہ نس 
”او رع یکن ان داش ا راوگ ہی کے سرکار ددعائم کے لی ار شار ایا ملمافوں یش سب سے پانام کار وو ہے مج ےکی ایی 
ڑکا سوا کیا جو ترام تہ ی ر ای کے وا لکرنے سے دہ ترام موی مو بفاری سم ۱ 
نر وت ا سا لو ں کے بارے میس فال جو ê‏ ہے اراد و ون ہت 
کل یت تا اح لیت کت کے ہے سح رت ا انان تن لوگو ںکا سوا کرت 
اقم ل کے ای ضرور تکی :ناپ ہوناتماود ال م رال نی ہی کیک ا یکو توا سے ی سوالا تکا بن رواب لاجا 
® وع اہن ةلقان شزن الو ضلی الل علج ولم كۆ ن فی اجر الان ازن ¿ ابن يائۈنگم هَن 
الأَخادبْثبمَالم: مغو انم ولا ابا وگو فايًاگم وَاياهوْلا يِضَلزنکُْوَلايَفُوئُو کو (روا ہے 
اور تضرت الومرمرم راوگ ہی ںیگ حفر ا کے نایا ری رات تہ سای ! ۰7ء و ا 
ال اک ع لی کے یں تم نے تس اور نہ ہار ے پا ول نے سنا ہ وک لیا انا سے مھ ادر ا نگو ات ےآ سے ازا دہ 
میں گرا ہکرس اورت فقنہ ین ڈ اس ر سار ۱ 
2 :رث کامطلپ TS‏ کے جوز ودنیز کا فرب با داوڑ ھک 1 
۶ا سکیل کک ا اور مشا سے ہیں اور یس را کے یک طرف جاسے ہیں دی چوٹی می ن طرف ے ومک 
کےےلوکوں کے سانے پیا نک ری گے یا طبر کو کی رفاوب مفسو بک رکےلوگو ںکو مود کے :اف ؛جکام بل بی اور ) 
قلعا قر واکان لوکوں ہیں :یس کے ۲ 
ارز سانو کو حا ےک اکرو ہا لوکو ںکو ای ان سے :این رکد ا کرب سے یک وو کون ڑل 
وی یی شیک وپ رت شس تل کر ري ۲ 
ای کک مطلبپ ےکہ وین کے مالک نے می ۱ع ط سےکام چا سے نی رک اور ہے لواو ں کی مت ہے ھاس جو 
زرل اعرش او رتفا خوا شا تک ارہ سن ون ہب کے نام لوو ںو وکا ےیل اور لع سے روپ طط تہ رکاج ہے مع 


2 ہا ٹس وم رو سے 7 جر ہے ہنا راو وس 


ار جرد ا E‏ ٴ لیو 


0 قل اوهل التب بفرأؤن توراه رو زتها الد لال اطلام قان زسز و ل الله 
۱ صلی اللَهُعَلَيْهِوَسَلم لا تُصَتَِلوْا اهل لكا بولا بوم ۇۇلۇ أمَنَّابالْلوِوَمَا رل ااا لای ررد شرل ٠‏ 
ہت اور حضرت لو ہریڈ فراتے می ںکیہ ان للا ب لور ام کو برو ہاش ھا ا و وت ضا 2 
ا کی تفر عر زبان شی سکیاککرتے ت سرکار رھام کو نے کاک ل وک رک راہ سے فرا یا تم اف لک کو رکو اجو اورت ان 
۱ وااو صرفب) ےہول : الت بے اذر اک چی رتو" جم پال کیان لائے (اشرآیت 7 a‏ و 
شض رر 
فلا نّا بالله ا ازل إلا 7 ازل إلى ِبَرَامِيْم َاسمٰعنل 6 احق قب وباط ما تی مُوٰی 
وعیسی ومآ أۇتى النَِن من رتهم لا فرق تان اَحَدِنهْموَتحیْنَدْۂز ون ( ور قرو ۱۳۷٣:۶‏ 
”لمانو ہرک ہم خیداحہ یمان لاس او رچ وراب )چم یہ اتی اک مہ اور( کب ابر الیم دو رآ جل اور اک اور تقوب م العلام) 
اور ا نکی اولادپرازل ہوئے الت پر اورجوکتایں موی اور کی یہی السلا مکو طلا مو ان پر اور جو اور کرو ںکو ان سے پود دگارک 
طرف سے کالب پر اھان لاے) ان یں می سے سی یسب فر کرس او اکا (جدائے اصدا ے ٹیر دار 
ای 
آحضرت نے 2 "۸ 
فی لر تو و نکو: د ادرت ا نکو پچ انوہ ہآ تکزی۔ بڑھو او ا کو یا ای لے نہ الوک یہ لو کاب ال میں ریف 
حرتے رتے ہیں۔ اس لے ہوا ےک ہارسے سا تل عبار تکاترجمہ ویرک ر رچ ہیں ان کو انہوں لے پر ل ویاو اور ان 
اا لے سک اکر چا ہو نے تورات مل رود لکررکھاے ین چ کیو ناب ال ہے او رن ہے اس لے کت 
چک ایړو اورک ارت کرس ہوں۔ ٣‏ 
02 وَعَلهُقانَقَالْ سول الله صلی اللَهُعَلَیهِوَسَلم فی بالْمَژوِكَذِبا انبُخَيِثَبكُلْمَاسَيعغ۔ر 7> 
"اور شرت الو بره اوگ لہ 4 پیا نے رغاد رااان کے جھوٹ لے کے لئے کہ سس سی 
) ر کے) سے ا ۱ 
شن لب کر زوا یعدب پک ویک کن تخل کے کر ویر 
اوو ں یں ا سے ہو رک ریا ے تو وٹ إو کے کے کیا بہت سے کیو کی سا اآوں ر ا وکر لیا اور اض ن کے اس وکیا 
ریا ھوٹ کا از ےچوک سی مارت میں لاہ وگا وق جھو کی لعنت می کیک رقارہوگاکوکہ وہجو ہے تا ہے اس یش 
سس یس پوت اج مو ش ھی ہوا اورجب وہ کے سا تو تم مو کو لک نما ےووہ بھی وٹ وا ے۔ 
ور و و ور الک تھے 3ے 
کی لوک نا سے 
0۸ ر ون ابن مَسْغز ئۇوقال قازر ُؤن اللہ صَلی اللَهعَلَيْوو ماين يالى یقن انمز امہ 
َوَارِينَ وَأصْحَاب ادون سه بدن باهر مھا خف من غدهم خُلف يلون مال يفعلونَ و 
َفعَوِنَمَلاً ئۇمۇۇرَفْمَنجَاهَدَهُم سری EE E E‏ یک 
وش وز اذيك من انان حب خزد رزو 


مظاہ رن جرد ۱ ۱ نچ جج تی 
اور ری ا2 س راوکی چ کہ سرکار دوعا جات نےےارشادفیایا۔ کے سے کی قوم یس ن را ےکوئی نی ایس مھ س سے 
رار اور روہت اک آرم سے نہ ہوں جو انس (نی) کے رکو انتا رک ر اور ا کے اام کچ رو ی کے پچ ران (رو ست وید دگار 
کے بعد ا ناخلف (نا لک لوک پیا ہدتے جولوگوں ے ایی بات کت کو قور کر سے اور و ہام کر سے کک وین مم یس ملا تھا 
چیم اک لاء سوء اور امراء و سرداروںاکاطریقہ چ )ہزم سے)۔ جو غا اع لوگوں سے اپنے ہا تھ سے جبادکرے دہ کن ے او رتو 
ید کی سی سو سن سر رہ ا جا ا 
لا وہس ان کے خلاف ج بای کر که ای )شش رای ابر اتاك سے 2 ۱ 
شر :تھ سے ہما وکا مطا ب تو ظاہرے؛ رو و بی سو کور i‏ 
کو THE‏ رچ اک رع رل سے چہاد کے لیے ہی نک ابی غلط چڑوں 7 ہا کے چو ری وشرلعت 
کے فلاف ہوں اورول شل ان کر لے والوں ے لح ورت ر - 
ْ اقرش قرا کی خسف کا ساس اشا دمو جا ےک دونلا زو ںکودل ےنگ برا جانےتوا لکاصاف مطل بی موگاک ‏ 
اس کے رل میس ایما نکی ملک یکی روق کی مرو دن یں سے ١س‏ لے ےی ریت 27 رر لد 
کی برک پات سے راک او رز ے اور ظاہر ےک ےکقرکا اض ہے۔ ۱ 
9 وَعَن ابی هُریرةَفَلَ قان رَسُؤن الله صّلی اللَهُعَليهَسَلم هَن دعا الى دى كا هن الَْجرمِنْل أُجْزِمَنْ 
َبعَةُلَأياقُض ذلك مِنْ اجو رهم یلا من ذخا لی ضا کان وین الام بل ام من فلا يلفض ذلك بن 
اشيا رٹ ۔ 
”اور عطرت الوم رہ زاوی ہ کے مسرکاردوعا کو نے ار شا دقرا جرش ر زی ِ0 ١‏ ای وات لے 
تاجن اک ا یکوجو ال کیچ دی اترا رکمرے+ اود ای( پچ روگ اکر نے دانے )کے واب پگ" یکھر نہ ہوگا او رج یکو ۸ یی طف 
ال ئۓے ا کو ای ناد ہوک تنا کہ ا یکو جو ا کی اطاع تک رس اور ان سناش 21 یکم نہب وگا۔ یں 0 
تر :شی جوجس کی بلا کا اعث اور ڈراچ ہد گا ا یکو کی شای واب ےگا تنا کیہ اس بعلا ی کر نے وا ل ےکی ۳ 
7 یٹ ورای رف بلانے وا یکو جوقواب ےک ککاددے| وی ا ا e‏ وک 
اطاعح تتکرنے والوں کوچ ولواب نے ےکا وع کے ضا کی نا یر وگ اور جو راپ و پاٹ یک رف پلا کے وا کوچ رکوہ ا کی 
ووتو" ون کاپ وک کی مال ان ووں ےکنا کا ترون کر سر اما لگی طف بلاتے ہیں اور خلاف شر طریقہ ر 
عو مکوچلاتے ن 
.لا َعَندفَازَفَانَ رسزن اللیضلی الله عَلَيِوَسَلم ذَأَالاسَادمُغر بابز ذُكَمَابَذاً 7پ 
”اور حشرت الو ہرہب راوگ ہی کے سرکازدد تام ڑا نے ارشاد را یا الام مروت میس شرو ہوا اور اج رٹل یھی ا سای ہدج ےگا۔ 
٣‏ ) اذا اء کے لے خو خی ے۔ ا یم " 
ٍ: تج سے ےس کرو سس تی مات 
ران ریب اورک ے لک وچ سے انی اپ و کوچ وکرو و سے مکو کی طرف ججر تکرکی ٹیہ ای رع آخرمی ایی 
یبوک اسلام غرییوں یک طرف لوٹ آ کے کا نا ان شرا کے ےن کے قوب یمان و اسلا مک روق سے او یی رع منورہوں 
غر تو سعارت ہے۔ اس سن ےک ہن خرن کی بے چارسے الام پ ٹا ت قد رہیں کے او رقاب وق کے عمو حارف 


مظاہ رک ری a ) "7 4 ٠‏ لر اڑل 
اگ ںکومو رکر ی گے۔ 
© وىتە قاقز رمزن صلی للا يدوسم ازم ج تيا رای مدت گابا رايا الى حر امتاق 
َلیِوسََد ُرَحَبِيْثٌ این شزیر رۇق مات رگم »فی قاب تايلك وَحَدِبتی ماويه وجار يرال ظابفة 
من ای فی باب تو اب هدو الَأكّةرنْشَاَء اللَهُتَعالٰی۔ 
”اور ترت الور راو ہی سکم سرکار دوعا م چنا ےار شارفرای۔ ایران می گی طرف اص ع رح سس ٹف آےے گاضس رع انی مل 
کی طرف سنماہے۔(بناریا و لم )از خضرت الپ بریی کی حد یٹ ذرونی مات ر گعکم تاب ماک رع اڈ رکرس گے. 
ترت حاو وجاب نکی رونوں رم لایزال‌من‌امتی الخ اور لایزال طائفةمن اھتی۔ مگ ال ا شت کے ٹواب کے باب میس وکر 
کم ری کے اتام ال :ی می صاحب مما نے اکا بش کر ا کی تم ائ کو النیاوں میں زک کیا ہے“ 
شرع : دشنان اسلام کے ماب اور ہلالم سے ایل ائمان کے اکن اور اھان م خابتہ ترم ر کی شا لآحضت کا نے 
سم نپ ےوک ہے ا کی کہ دد کے چالوروں کے مقابلہ می ہانپ تیا ہے او ریت م کرک ل مس جاجاہے او رپچ کل ہی 
080صص "0 پان کے ہی کوٹ تو اق ات بج رت کے وقت کے لے تھی اپ نر زبادہ کے بار ہو جب ۱ 
سی ییاور می چے جایں گے۔ 


لقصل لانن ٰ 
@ ريغال 09۶--6 ھم رما فی ېجو رایناز 
لعل لبك قال فكامث غاي وَسَمِعَےْأَذنَای وَعَقَل قن قا بل لی سڈ تنی دارا فَضنۂفِيھَامَادبََوَرِسَل 
ایا فمن جاب ادان حل اللَار و اگل مِنْالْمََْيَةوََضیٰ عله السب ومن لم يجب الدَاعی نَم يذ نحل الذاز 
لکل i‏ سھس ہف خم الدَاعی وَالدَازالاسْلام وَالْمَأَذبْدَالْعَتَهٌ 
> ڈ(رولدالدارگ؛ 
”ضرت ربو اکر راو ہی ںکہ آحضرت پل کو خواب یل فرے رکلاے کے او رآپ پل ےکک تی فرشتوں ن کہا 
اک کیم ا و u‏ ی( کان می اور آپ( را رل ھے. آپ (پ ٹا نے فربا یا تو می ری یسوی مرے 
ا E‏ آپ نے فر یاک کے ےکپاکاشن شال کے مور زشتوں نے میزے سان بیا نکی اک | 
مرو ار لئ گن مااد ر اناا رکیا پچ ایک بلا کے دا ث ےک و ھار اک دہولوگو ںکوبلائے لغ اس نے ہلا سے وا ےکی د عو تکوتہو نکیا وکر 
E‏ او زی کے شی ےکا اور سدار ي سے ری موا ٣ور“‏ سبلا کے وا ےکی وگوم تک وتہول : ہکاوہ ہگھرشل وا ہوا 
اورت ہکان میں سے کھای اور ہیا اس سے مسردا خوش موا آ حط رت نے فایا ی شال شل رار سے عراوخداے لے وال <- 
سے راد کر ہیں کے سراداسلام ے اورکھانے سے عراوجشت ے_' "وار ) ۱ 
7 :پاس اکآ پ( کی نیس سویں ن زی (نکھموں ے اور ہے زہ رت ےک بات کان 27و 
سوال ا ےر شتوں کے کا مطلب تاکر ٹوب فور وشوش اور حضورول سے سا ای مقا ل کو سن جو جم یا نکرنے دا سے میں 
کے خوب ایی طرحع زان شن ہوجائے ٠اس‏ آنحضت لا ے جو اب واک نامت عیدای حن مر یڑک یں سو ورک ای 


ل آ پک ا مگ رائی زیت قار ہے چک ٹوگوں نے لیس ر ہی بن گرو کی کیا چ ال کے حال ہونے می دتا ے فرع راہ 02 070 


مظاہ ر سط رت ۱ ۱ ۳ ٰ لر ال 


یمسر تی شر کی اش × ي 

ڪر رت می ں کر سے ہراد الام لیا گیا ہے او رگا کے سے جشت مرا دای سے ای لے کہ مکانپہشت میں وال وٹ ےکا سجب اورزرلیہ 

ہے کی لے ا ےکر ٹیل دیک با ۃ کے تی مہمان کیا سے کے یں وولو میٹ شل اس سے مارجا ت نس پل ۔ 
(۴۳ رَعَن ین ژافع قان قان رسُؤل اللہ صلی الله عليه ولم اي احدکم ٹکٹ عَلی ارکب بای آف زین 
مر مِمًا از ث با ؤْلَهَیْتٌ عله تقۇن ل ا ذرؾ مَاوَجَذٰنافِ كاب الله اتبغتاة_ 


اروام آم وا لس کی والرراڈد وان ماج ہا تین درا خر 


) و" راوگ ہی ںکہ سرکار ووم چنا ےار تا ورای ؛ یکم یل س ےکک کو اک مالل می نہ پان لک ود ا نے چچ رکٹ 
۱ رکاپ گے کے ہو ہو اورمیرے ان اکان مس سے تن کا ن ےکم دیا یی سے کیا ےکوی ما“ ہے اس کے اوروہ 
اسک نز رر رس شر رج 


زر ١‏ الوراژو ري امن اج E‏ 


تح 772/ص TT‏ 
عبت ش لکوت یکرے اور تہ وی علو مکوتر کر سے اور ازراہ چیا لت ونادٹی مہ ر ےک یا ےکم کے ےک جو قران یس صرا ہت 
کے ساتھ موجودنہ ہویہ نہ ہن ےک تاب اق کے ملاو ی اور یھ نیس اتا اورت ا کے وی دو سرکی پچ کی رٹک رتا ول نس 
مر بث مآ کرت لے کور کر ارت ار ےر ےب OTE‏ رم ارس 
شک وش ک اما ر رس گے ما ان ای اطاعت میں ال او یکا الس ری گے جوصراحت کے رات قران یس موچوو ر ہوں گے اور ا نکی 
ظا شی ننظریں قرا علوم کے اسرارومعا کی عیشت تک کے تاس ہی ںگی۔ 
چاچ و لرگ سی خی لآ ری کک دن :وشریجت اکا وسا مرف ترآ ن چیم رو کو ہیں مالک وول کے اند ےی ۱ 
یس جاک سے سای د اکم ڑآ ی ر ٹس موجو نیش ہیں دہ صرف مر یٹ شل عراحت کے سا تج وک کے کے ہیں٠‏ کی ے 
ءال نت و انماع تکا قد ہمہ ےکک طرع اکا شرا کے لے قرآن وکل وت ہے اک رح حدبیث بی دیل و چت ہے 
ان جس رح قر ںآ نحضرت تا ازل مواچ :اط اعاد یش کے لرومتارفی گیا رامیت ی سے ازل ہو بے یں 
لول وای ۱ 
ر یامن قغدنگرب قار :قال مز اللٰصلاللَّعَلَ وم زرل این اور ت لزا نَوَمنلهمَعَۂ الا ۱ 
شك زج بان عَلی أرِیگیو فُزل: علیکم بهذا لقزآن فما و جد تم ف نه لہ من خلال قَاجلَوة وما وجَدتٌم في 
مِنْحَرَامِفحَزَمُو واِنٌ ما حَرم ۇل الله صلی اللةعلَپوِ ملم ماخر الهأ ليجل كم الجمازالآهلیْو؟ 
کلذ أب مِیْ الصَبَاع ولا لَه مُعَاهِ الا ان يشتغيق عَنْهَا ماجبها هَن زل بقؤم. لهم انبره فانم ۱ 
روه قله أن يغقبهم ب ملل قرا)» روء ۆد ا ۇد ۇزۇىالدارمىنخوه ودا افا جَة إلى قَزلہ ررکَمَاحَرهَالله۔ 
”اور نضرت ہو ام "ارت راوگ ئآ آحضرت بات نے ریا کہ روا قرآن د کیا سے اور اس کے مہات ا یکا 1و 
7ون ریب اپنے چ رکٹ پ پا ایک پٹ بھ رفس یکاہ اس ال ترک کد اس ادلا م جانواشیفظقرآ نہ یھو اور اکپ 


E‏ آے ۳ کرای ام نے الور اورا کئیت ہے ے نک ور شتی شریک یں ہو کے تھے علا سیا کے قول کے عاب صرت گی کے دور لشت م نت 
ا 


تہ اھ ر سرا بن محدکرب او ریت بھی مع درب سے آپ ممالی یں شام م ے۸ ہے می ٣ھ‏ سال پک۷ ۶ھ 


مارک جرد ْ 00 ) سب 
RRs‏ ئن ھی طال ای ومال نالو اور یس تی وگ رسول الد پت 

نے رام فرایا ہے وہ ال کے ار ے جسے خیدانے مرا مکیاہ راا تہارے کے : E‏ ورل ی رعاعلال کیا اورت ب 8 e‏ ) 
:درنرے !وش تہارے لیے ماپ IL‏ یس سے معا ر ہیا یالط ملا کہ ےگ ذو لقطہ عطال ہے چ کیا پرزادا ی باک او 
کے ہو بز اور جع سی م کا ہمان ہو کی قوم لازم پک کا ہمان کر اکرو شمان کرش تو ہہ لگنس کے لے جائڑ ےک وہ 
مال کے مات ان سے حا کرے۔(الوداڈدادار نے گیا رایت کی ہے ادر ار میٹ گیا کے گالوبیت سے 
عطاہوٹی ے_“ ) 


رع ”انه میت ہے نشیٹس طرح تن جیب ب ناز لکی ایا سے اک طرح دی بیج اکا الو ہیت تی سے عطا 
ہو ے 2 رن ی ےک قرآن دی ہے اور مريت وک لوغيد ۰ زا واجب ا ی دوفوں ہیں الا لیل ے ور شال کے 
آپ پل نے را یاک ان چروںک ممت ترآ میس یں کو رکیل ہے شر نے یاک مت یا کس ٹس پیم لکرناواجب : 
رکچ ۱ 

7 0+ ) سے سی ا اس 
معاپر و کے ہیں جس کے ات مسلرانو ںکامواہ ج امن ہواہوہخواو ہکا زک ہو انی ہا ہے با ی٠س‏ راا الا لکالقطہ 
مال یس نے ہاں١‏ 30ئ3 بے" ے٢‏ کی کا مالک بے نیازد بے ہوا ہو شی 2 ل £ ملا یکل رو 28 
کے لے نا جا سے لقفہ ئل چو کت یں چرامد کرک کیا جاے۔ ٦‏ 

آنشریں کے کس جو وض کے مان مان ہے توم انا کی مات دا ری لازم سے نایا کت یعرز نیش ٤ے‏ 
۱ لہ ویار سپ و اوی ے؛ اک طرحع موی ہگ یران ہما زگ دک ےترمنان کے باڑےو: مان ے 

۱ نراک کا عو وضو یکر لے یقاس سے روپ چیہ لے لے۔ ٰ 4 
ہت ا کے ہدوہ کہا جا تا ےک بی ستل یا تو شک می پائ اج بک جرد یخظ اپرب اگ لے و ینہ لے 
دس کے ہلا ہو چان ےکا ر ہے ہراجا کا جرا سے الام می تھالئین اب ضور چ 

8 ون المزباض بن سَارَةقان ام رسو الله صلی الله ليه ولم قحب اَجَدُّكُمْ مك على 

نکی نا ثٌاللَةَلَم يْحَرِم كيا إلأمافى هذا الفرأن؟ بد یں وهب عن شس 

مطل القزان أو اتر وإ اللةلم جل لمأن ترايز وت اهل الَكِتاب إلا ای ولا صرب ناء مم ولا اگل 
ثمارهمادا عو گم الذی عَلَيهيما رو ادود ورفن إِسناده تُب مُغمَ المَصِبصیفذكبّم فن 

اور خضرت عراش جن سام سے را وک ہی ںیک آحضرت کت (خطبہ کے سے )کے ہوئے اور فا کیام یس سےکوئ ینف اپنے چیر 

کٹ م کے کا سے ہوئے بی خیال رکا ےکہ دانے دی تی را مکی ہیں جو ق رکنش زک رک ہیں٠‏ رار اد اک مبلا شک یں نے 

تم دا ٹس نے فیپ ٹک اورٹش نے عکیاجندچچڑوں سے ج ل قان کے ہیں بک زیادہ ہیں ؛بلاشبہ الل تال نے ہار ے کے ال 

۱ اگ تما کاب کےگھر ںی ؛جازت نامل کے بے جاواورہقہارے لے ا عو رو کار اعلا ل ہے اور نہ تہازے‎ fl 

لئے ان کے پچھلوں کاکھانا چائ ڑکیا ے ج بک دہ ایا مطالہہ ا وروی جو ال سے تہ تھا (الوداڈی ارہ انل س ہف 
سر۰ جن کے بارمے میس کیاکی کہ دہ نہ ہیں انل ؟۔ ٠‏ ۱ 


0 نخرت عرش ای سار ےگ لکنیت الہ ہے اور ی یت و عوہ کے 
آي ا ما ۱ 


02170 2 ) ) جج رود 


تم : اراِللہلریحل أت رت آنحضرت شی فو یں یداو ا 
وای وکر رر اور نرا کو انار اوران مرواو ںو تاور لی بای رح ان کا لک لوج بک ره 
تج اداکری۔ . 

امم چک اخ رآ کور یں ہی کک لسر ی لاو انزو سے نے اپ ران“ ل 
ترادا جب وشرو رکاسے ان اام سے کہ کر ا عراش کی کیاا کاک پر قرآن جس چک موجو دیس ہیں ا ے وا بی کی 
یی ۱ 
۱ آتخرروایت مل لفظ رواہ کے پور لوچ کےا نم یک فا ہا نک ماب کاک دی کے راوید 
واو 00 6 رک شا و ےر روہ عبات لور ا 

© رغال صَلى بتارَسُؤل اللو ضلى اللهُعَلَيه رلم تاماز خی غكك مزمادا رف 


درفت مِٹھا المي وَوَجلَٹْ ينها اقلوب فَقَانَ رَجُل یا رَسُزن الله كان مہ مَوْعظة مدع فصتا فقَال: 
أوصِیْكم قوی اللو نفع زاظاعة وان گان عدا حًا ق من بغش منم غین فسیزی غفا گییڑا 


ٰ عَلیكُم بسي وس نی ری هین تمس كؤا ها َعَطُزا عليه بواجا واكم وَمُخْدَنَابَ 
الڈمزر فان ل مُخْدَنة NT‏ کل دعَةِضّللقہ رو خمد وآئز زذاۇد اێ مى انى مَاجَةَلا اَهمَالَمْيَذکُرا 
الصّلاة 
: "اور تضرت عراش بن سار“ راو ہی کے رار ووعائم پا RE Sea‏ 
وش اراز یش تیج تک کیہ مار یآ کھوں سے اتو چا ری ہو گے اور وگول یل خوب بدا گیا نر یں سس ْ 
٠‏ معلوم ہوتا ےک )کو ع کر نے وا ٹل ےکی سی (آقری کت ہے )لا کور مت زا رجف 8 نے امہ می لت کو نیع تک 
ولا اہ ترا ےڈ ر ے رہو اور او ھک وران روا ر چو کے کے او رجالا کے کی وعحی ت را ہواں ا روا ی فظام ہو ھٹیس سے جو 
تس میرے بعر زنددر ہے گاوہ الاک بھی دک گا ری عالت ش پلا زس کہ میرے اد ایح یف غفا سے اشن کے طری ہکو : 
ازم جات اور اک طروتت رکرو سے رکو دوز ا کودانوں سے مضو پگڑے ررہو او تہ (دین )تی ی افش بد اکرنے سے بیو اس مل ےک 
رابات بد کت ہے اور ہریز عت کرای ےا *اوداؤد ررق ؛اکنااجہ راک رایت میم مک اور ا نماد نے مار ڑج 
٤‏ ری ںکیا سج انکر وای می حدیث کے الفا ہج لاله صلی الو و لا ف 
ک وعظاموعظةءے شرو ہل ے_" 
ش0 رای کے قول شوہ 9 ب- ‏ 7 “,۶۰ 
تو سکوی کرنے والا ہا ےتوبروقت رقصت وعنا و ج کے بیان می کا و ورتا ےا 2 پل وشن د روا کے_ اک طرح 
آپ کا ےک اوقت اک انراز سے وعف و اعت پان رال ےکوی آ پکاوقت رع ت ترب ے زا اک سے پیک ہآپ 
۱ واسے شرف نے جا 4 ی نس رار کے جو وی ورتا رولوں تہ مارے لے ر کول 
اس مریٹ سے معلوم ہوا کے مان رار و مک اطا حت وفیاغیرد ارک ہرحال شل ضرو رک چ الا کہ فلاف ش پیٹ اتوں 
کم نہ درے چنا چہ طورمبالضہ فما اک ہاگ رہ لمان مروا ری لام ی کیوں تہ ہو ا لک اطاعت د اہ ودای ضرو رکچ داتول 
سے پگڑ نے کامطل بے س ےک ا پروی سے ار ین اور کی ےت کات ادپلاز مکرلیاجائے۔ ٰ 
۔ وع حیلوِ مود نئزیال میں نے عامقا «طاسینلاللو ۇخ 


i‏ ہر رر ْ 1 ۲ هلر اقب 


خْوظا نميب عن شِمَاله قان هذه سبل على کل ید نها فبظان يواه اقرا :«وأوهذاصراطی_ 
مُسْتَقَيْمَافائَغُوم, E1‏ ق وش والتارگی) 

او رنضرت فا مین ور ر ہک ؟نحضرت پان نے یں ھا کے لئے ا رے و 
ے نچ رآپ جا نے ١ں‏ خط کے وامی اذ میں ائی ( چون او رٹیڑھھ ) شطو کے اور رای یہ E E‏ 
رات پر شیطان(مڑھاہوااہے جو اپے رام تک طرف با سے پھرآپ ڈل ہے نز امت از وت فا ان هذاصراہ ٠‏ مقي 
فَاَعوْمُو ل بوا الل فرق بک معن سللہ تم ادر بے گب یرای رعا رامت ےڈاس ی نی تج 
07 رداک ال شش ےرا سے ہیں ۷ (اتھ ا نز ۱ 

شس :خط م جو آنحضرت نے مل ینا اوہ راہ خر کی ال ہے جس ےکچ عقان او نیک و صا 2ئ0( 

رو “ہے ھ2 خطوط راز شیطا نکی شال el‏ ت ےک کک دعضلالت ہے رات مرا ار 
© وع عبوالله نن غذرو قال قال سول اللو صلی اللَهعَليهوَسَلم زی حدم حى يَكزوَهوَه تال 
جلت پو رز فی شرج الشندفاز وی فی ((أَزیَعییم) هذا حَدِيْت صَحِیخ زربا فی راکتاب الحجّة باستاد 


7 


صحیٛح۔ 

"اور نطرت ید ایق کن گر او یگ 27 ما بش 9+ ے 4 س ای رقت تک رامو یں و 
ھا کا کی خواہشمات اس جر ری وش رلیجت ا کا ماع نزیس ہو یں 7 کی لوک (شرای یا نے سے لا اہول یہ عر ہت تمرح اتیل 
یت اور ا نے ای ول میٹ "م ککھا کہ بی ریف ےج کر ہن کاب او ضد کے ساتھ 


رواشت ا باےے)۔' 


نر0 رث کا مل ہے ل 7ھ و وتات جو وین و رج کا ری 21 چرد اور الا راتت و 7ا مس کا 
0 کر ر زا کیا ز نی کے م اوخوا ا۶ا ات وکیا ر انت ټوا ا امال وعارات ٹل 
کیال رضادر کیت اور وی را وش رت aa U‏ ے مر ا یکو 
ا کی ہو سک سے نس کالب وریا خواہشمات تقاف ی تما ات پک وصا ہوک رود ایک مق روک سے کی 
کے چا کو EEE‏ ےار ےی 
9 غن باڈل ن حَارِٹ الْمْزنِیٰ َال قال ز سول الله صَلی للهُعَليو وَسلّم ومن آخیا ةن شون قاع 
دی فن هين الجر مل أجُؤر ن عَجلَ ها من غير أن تفص ِن ارجم شیا و الندَعَ بدْعَة ضَاِلهُلا 
رض اھا :لل َرَسْزلَه کان عله من الام مل انام من عمل بِھَا ل لقص من 2 شَيَاء زوَاۂ الْزمِدِیوَروَۂ 
ان مَاجَةَعَنْ ور و وس 
”اور خضرت بال جن حارث مر" راو ہ کہ روو کک ےار شاو رای ا ا ا و 
ایا جو میرے بعد چوز یش و ا کو اتا لواب ست اتاک اس شات لکرنے دالو نک لے کا لیر ایی ےک ا 1شت 
ر انکر نے ال کے ثوات 7 اا داو ت ں کرات ک کوک وی خی بات (بدعت کال یتس سے الد اور ان کا 


یدک چس چ و۶دچ یچچ چچ ‏ چچچچج جججتد ہے میں ژوپجچسےہےژ ترہکہہہےہےہہچخچچ۔ ری ری چہہےے ےج ہے ہد ےس ز و ج ج ص 
Jd ۱‏ لئارٹ او رکتیت ال ودار ے٠‏ اخ یں آپ نے بصرد میس کوبت انار قرا گی حضرت معاد ے کے را شس ۹ جنر اک سال 
کا کا اقاي واه ' ۱ : 


ہے ۱ سے 7 طراول 


رسول خو لیس چو تو کی کو احا یکنا ہوک جت کے ا بد عت ےل کر کے والو ںکوگناہہوگا یراس ک ےک ان ک ےگناہہوں شی کو کی 
گی جاتے۔( رم گا )اور ای دوا یکو امن ما نکش رین د ال بنا نے اور گھرئے اپنے والرے اور اہول ئے اٹ داو! سے 
رواہ لیے" 
22 وو 9و لا تر وت 
اب تاس :اکا رہ ت رک کرنےوالوں کےگناہوں ہپ وک وآ دست پاک سے دالے کال یش ول 
کے راب رکنما ااا سے ۔ 
ہہاں ت ے E a E AES‏ ) ۱ 
) راد ک ری ا کیا جائے ایی مار اورک ستو ری جو مت وک وک مل وی ہوں :ا س کور کرس شار ) 
تما تکاموجب ے۔ 
ان عَفرِویْنِ غزفِ قان: :قال رسُؤن لَهِضلّاللهعلَیهوَسَلمْ لن لال جاک تأرزْالْحَية 
لی جُْرِعَاوَلِيغقلن ادن من الْججَازِععقل الأز وة من زاس الْجَبل اؤالذلیَتَدَأعَرِاؤمَیئز مؤدكمَابدأ زى 
ا وَهُم الْذِیْنْ يصلِحْزنمَاافْسَة الاس مِن مد دی من ستیٰ )رده اترک 
اور نضرت گمرین کوک ادگی تی لک صرکار دوعاگم لے ےار شار فر ای جا شی ر (ا لام )یاک ور اور اس کے متعلقیات )کی 
طر۱ طرع مآ ےکک علر کہ اٹپ اپنے مل کی طرف کٹ تا ے؛ ادرو امش ١س‏ ط رح جک چ نے گاج کرک ری 
اڑل وٹ مر مد 4 کی سے اود وین ایتراء می رب اہو تھا او راش ایی ہو جا ےگا اکہ ارا شل تھا اچ وی بر 
غ ریو ںکووئی اس تی میرک سشت) اوور س کر وی کے ہک کو سے بعد لوگو نے خر بک دہ وگ" ترک ا 
1 وَعَنْ عَبدالله بن نر وقال : فان سل الله صلی الله عله َسَلَمليَا یئ على این كما آئی على تن 
إشرآيل حر ئل بائئل: حَتی ان می ہیں ايى مئت ذلك سش شش 
رقت على تين َستعین مله نتر مین على لب رَسَبعین لهلهم فى الا رِلأملهُواحِةۂ فَلوْامَنْ هِ یبا 
رشن اللہ َال داع وَاضخای) رای وف ةمد ای دة ناوتان ۇسێغۇن فن 
التّار وَوَاجنَة فی لت 2 ھی الْجَمَاعَة اله مرج في أن فوم نجازی بهم تِلَك الأَهْوَآء گم نجار 
لکلب بصاجبه لا جا لی مِلدمِزیوَل‌َفْمِلْلادَعَلَه ٰ 
”اور ضرت دای بی کر راو ہی سکہ سرکار دوعامم کو ےار شار فاد پاش می تحت ایی ایازاد ابا الہ کا 
ام یل آیاتھا اور ووقوں جس ای مماشت موک یہ روفوں جوتے کل برابراو نیک ہو کے ہیں یہاں کک مزل سے 
ریا نے ای ما کے تھ ملاع پر نیک ہگ یتو ری مت م کی ای لوک ہوں کے جو ایا یکم کے اور تی اس کل تر زتوں 
) قم ہو گے تے ری ات تن فرقوں ب س تیم ہد جا ےکیپدردہ تام فر روژ ہوں کے ان یش سے غرف یک فرقہ کی ہرک 
ھا نے کیا ار سول ایی کا ی فرقہ کن اا ؟آپ پچ ےا نس یس یار ر میرے ا کاب ہوں کے( رھک ) 
اور ار والوراڈر کے توروایت معاوے سے یکی سے ا کے الفاظط یہ ہی کہ رکروہ دوزخغ یش جامیں گے اور اف 
ھائ ا اور ووی رور ”اعت * ے دورمیری ات ج شک قوش پیا ہو ں کی جن می خواہشات فی عقاو ا مال مس بدرعات ای 
رع سرا ی کر ہا ںی ننس ر برک دالے میس برک رای کر ا ےک کو رگ اد رگول چو ڑا ی ے ا یں ربا ”' ) 


ارت پرر 9 ےت a‏ 1 کر یراول 
2 و ا اگ تم تک ما کو جوتو ںکی بر ایک سے 7 سی دی کے Pr:‏ نا انل کے لوک سے مان ن 
را عمالیوں شی عتلا ے اک شر ایک زانہ ایا آئے والا ےکم جب ات کے لوک * بھی کل یاروش لک فر وما لے اور ٰ 
ان کے قاروا مال سان ے باکل مطابقت ہو جا ےگی۔ 
یہاںاں سے اال راو ٹنیس بک باپ کی یبوک شی گی ماں مرا ےہ لئ یں ےا ما سن پل یھر چ 
کت | کک رک رکاوٹ کے 2 کر ھی کاو ث کی ہوٹی ے۔ ) 
ایر ”اھٹی" سے نرد ال قب یں تنج سلا نک جات ہیں۔ ام گل می نی الا تو ام فرتے دوخ مس 
ول گے کے کے ہہوں گ ےک وہ سب ا سے تادا قان اووہد ا مالیو ل کی ابر دو رش وا قل کے چا ی کے ذس کے قاترو اال 
| اجر حل مر ہوں کے لی وہ و اترم تفر زر آ ہو ںتو اٹہ ل رشت ے وہ 17 رت ٣ر‏ ےر رورغ سے کال لے چپ ا ےپ ك 
صرت مل کرو وو ”بتاعت گیا ہے اور اس سے ماد ال عم ومحرفت اور صاحب فقہ ر بت پیل الک و جمماعت ' ۱ 
کے نام سے اس لے موسوم رک گیا کہ کس رر ری سیب شس 
ہیں زکورہ عفرتو ںکیاصی لکردی جائے۔ ۳ 
: سم یگوھ یں OOOO OOD‏ ۱ 
ناجیہ :ری عو ارود وٹ چون فرقوں پر ال ر م یی۔ 
© لے میس فرتے ہیں ۔ © شیع کے ہایس فرتے ہیں۔ © غار کے کے ہیں . و 
© ار کے نے ںاور © ہے( شر تصرف ایک ایک کے ہی ان می کے نیس ںاو شوا ل فرق باج 
.×× مرف ایک ے روہال مو لماعت ہیں جن ہیں۔ اس مو ر را فرثون کے عقوائد کیا چان طور سن جج ۔ 
مو سیت ہک بنددانے تام ا شا لکاخائی سے کاحب نمی ے نیڈ کا خقیرو ےک بفددصا کلاپ وین اود کا کو ْ 
زاب وا عدا ر داجب اور ضردرکیٰ ے اک طررع اس فرق کے لک بای تھا کے دبدا رکا اکا کے ہیں٠‏ خرچ کا یروب ےک جس 
رح کا رک لے وس کے صا او ٹیگ اکا لک رھ بیس ہیں ای رخ میم کو کی کے وال بر پگ اتال شر میں جانا اور 
بس کے بیان ٹس کوٹ ینف سد ہوا ےہ بفاریہ ال تیان کے تام صفا کا لک اذا کرتے ہیں اورک لا مالعا وتات سے یں ۔ 
۱ رکا عقید د ےک بندہ بیو رشن ےا سے ات ےگ یکل کو خی نیش سے مہہ ال تھا کی ذا کو تلوق کے مھا رت ہیں 
او ات ہار تال کی سیت کے قال ہیں نیا نکاعقیدو بھی ےک ایل تیان خوت یں علو لکرتاہے اور شیو اور غواري کے 
) متا ور ی ی“ کی شی حضرت یکرم ابش ںہ 1. تی کٹل جس. اب ان س؟ بھی کی فرتے ہیں: شی کے فؤر تو 
ْ حقرت ت یکرم اللہ وب یکو یں نھن حضرت اکر و ع غضیات فقت رپ ہی نین خی نکی گی کی کے ردو ہے رت 
حضرت انویر و ری گے قل ہیں ( وڈ ہاش حر :ی شی کے ےکی عقیر و ےک قرآن اق کی صورت یس موجو دی ہے 
ہا سکی لی وہ یں جو حضرب یک اللہ وچ کی تبت میں یں مز ف کر دی خوارجحرت م کرم ا کن 
ماع تک کت ہیں ہہ لوگ حضرت خ یک رم این وج کی نرک قا ل میں (حوز الا 
1 سس مت 21 مع اشا لک طرف اشا رواگ ورک ے: 
ایا انس جو ال تھا اسلام رولیت سے شرف ہوا ان EL‏ 72777 بھی سے 
رولوں ان کے سا 2 ری کے نے کے وت ل رون وخ ے چ یکرت ںوہ وم ترا ےک ددونوں یش سے کے تق ۱ 
۱ نے اوس کے دا تع کر سے ج بک سے پگ بے و ہے ا اسیدھاع یہ کہ کل چڑرں ایک یھ 


وروی ۱ ٦‏ 5 ۲ تا پر ازلی 


ص راہ کے سا تھ ئل ت و اشامت کد ارد وی یی صا تاکان شا پم أ 


وکو ںاو ی ہو اک ڑا ے زاود ان ایل غر کر ےت ان کے سا ائل تیک انی تآشکاراہو جا ےگی۔ 


ere Lo RDS i‏ ت بے ادرال 


مش واشجماععت می کے مت میں ن قرا نک ریم کے جن ھی مائ ہو تے ہیں و ہک ہو ہی ں ارج یکی شیع کو حاف ہیں وکیا 


۱ ۲ سی ےک نکی تمت میس ال مت سے مرو کی ہل سے ہ سنا جک اھوں ‏ وگ ایک شید حا لآ ےو ور 
ہے ےکا کے 1ے و اوک الناو رکا لمح رم ناو رنہ مہو کے د رجہ یل سے ۱ 


دو سے ہے جاک ہوٹی بات ہی ںک دن ړک اور رفوک کے تح اور کر ظ2 کا و 


: ت اور انی ے ینس امہ عا کے شی بھی مق ہیں اکر سک دال خلت اعت کوک اس رار روت یق 24 ْ 


مل فک اخقتیار گے ہو ہے نہ ہوئے۔ 


تسرے اسلا ی شوار شاچ ا مر کی یار اکر ےی ںاور شی ان ڑل ے 


کروم وب ےا عیب آل ` | 
تو کے کے دہ جور E‏ ورای ہر ےت ضر شل دا کے 
اوک" ای کک پانریں کرخیع سک اہ وا یسر پمسو دو Er‏ 


یی نیش FT‏ ا 
ام نتو اعت انی ٹک س00 :2 تک چیا وہ AE‏ کن 


) یں لیوات اخبا اور اعادیتث وآخارطں ا۶ کاڈ سو اتور بات ۰م ےک ما ب کرام رضوان اش علیہ 
ا 


70-007 الہ زک ماک و امار کے :رو ےسب بعد مداہوئے تو تایان ہل قرقون کے 
. مسلک کے پہرتے اورد دہ نیک وسا لگ ان فرقوں کے اتر جھ ارا ورتا یتین کے زانوں میں دن میس ے حش اضل 
۱ فرتے پیر اہو کے توان لوگوں نے :ان سے اپ لی فرت زاری کا اکا یہاں کہ ای خلا اترو کک کے لوکوں سے انت 


۱ رات نے عام حور سخ را رجا سے نرات ان وور اډ ین لیا ےرا ین اور ا ولا کا اکن 20 ) 


ال و اعت کے مقائر و کل کے ند ے_ 


را اس سے معلوم ہواک ہگ ایل شش و ماع تکاس کک د ہنا وران ے مقر ےک د ہو ےرا اپ مک ) 


۱ ا کک 007-20 ہے ٭ بے کن عاں جاہ بھی تھے او رتشن ای بے سے ادلی ال گج او لے کہ ین بھی عقاءو 1 


27 بھی او رکو ھی 


ر یال سک الل یو I, a‏ ن : 


موی سر و ورا سےا عا کے سے ال کا یج 
کو وکنا جاک ےو ا نکی اتہی یال ہو جات ےکی ورد یٹول شا گر ت 


مار و اک حرف تع ے کی زی اف کن رت الا 


ال سدیٹ کے ان تام فرق باط کے وگ کوک دالوں سے مشئہت دک ہے ا ل ےہر رح رک وا سے پ ورک ) 


[٠‏ الب ول ہے اور پالی سے بھاکیا ہے مہ شی وہ یا اہو اتا اطع جھوٹے را جب اور ال ملک والو پم شواشات 


س سو ۔-۔۔ 


اران م ہےو_ « ات | لد ال 
سای کا غلہے ہو چ وہ ITT]‏ سے با کر کی ور : ITT‏ ہیں تھ ےہ 4 : 
٣‏ روعاف موت وا وماس اوروہر بین ددنیادوفوں چ خر امت ے رو مر کے ل 
2 وع ابن عفر رجی اللأعتهماقال. قال رْسُوْلُ اللوصلى الل عليه وسم الله 5 تمع آئیی۔ قان 
«امَةمُحيعلى ضلالة. َي اللەعَلى الجَمَاعَةو م من شّذشذفی ارہ اتزل) ۱ 
”اور نضرت امن کر اوک چ کے سرکار دجام پا ےا شا فا یا ال تھا ریات گیا جاے میگ أتمت ک) 7 اہنت 
جو ےکوگ یرش نی کر ے کا لاک تھ جات پچ اور جس اعت پ ہے اد جن اعت سے الک ہے دو یں ۱ 
اعت ے ال کک کے ہار دز ڈالا جا کے گا۔ ری ٰ ٰ 
2 اش کے ہاتھ تح راد یہ ےک خدا نایک جاب ےہ ر02 تی اس ا سض ۱ 
7 اک جانب سے حمال بہت سے اتمانات ہیں وہ ال کے کیام ےک شت کے تام لوک کنا اور تا ہیں ر ع س | 
پورے شی بی از اتقاقکرتے ہی وہ ات بو ے۔ ١‏ 
9 وغنۂ قان: قال زَسُوِن الله ضلى الله عَلِيهِ وَسَلم: اتيا لواد الأعْظم فان َا فى قاروا 
اهم خث ]نس ؤال عَاصم فی کلپ السُنَّة:. : ا 
”اور تر امن عر اوگی یک رکرو پچ نے ار شا رفا یا زی جماعح تک پروی کروا تیک اعت سے ا ہوا ِ" 
ہا آکب یس ڈالا جا ےگا این اج نے ے ری کاب ال ے مد میٹ الس و اہن ما سے رواٹ کے“ ٰ 
اق اس ار شا دکامطلب ہے ےکم ابی اعارا تک رو کیا چا کے جو اپ کے نز دی ک تق نوں اک طرح لے اقوال و الک 
تو لکرنا یا سے جو جمہورعماء ے خابت ہوں۔ ال مرس شلف روا و کے بعد اسل مک ویش تل ای یکی لک صاحب اوق ر 
کو ای آنا ب انام معاوم وای جس سے مر یت ل کچ بعد میرک شاہ نے کورہ عبار ت کی ہے۔ ۱ " 
© وع انس قا قال لیرد ول صلی الله عله سلما إنْقَدَرْت انح ونميى ولص فى فبك 
کت ر لاخدفافعا» هن اي دكين سيیر َنْاَحبسْتیی _َقَذََحَتيوَه ىک ابی گان معن فی الجن 
(رواہ اأمٰ) 
اور حضرت ار E‏ 5 7 ت“ئمھم سے لے 
سکرام تک اس ال شی لس رگ وک ہار سے ون مل 081 گید ہوگو ایا روا رف ابا اے ہے کے ایی ری مت ے زا ٣‏ 
کک ید ہر ہی رد سس 


کو 
تج سسہتنیارے اسی a‏ نے ا اور ا سے وپ رھت 
ضرت کت سے بت رک کا سیب او دہشت می ںیآپ کرتاقت بھی ند تیم ے حصولکازرلی ہے ای س وی 
ات کہ جب آپ کک کت کوپ دکرنے ے ری ےت وت نوی Ê‏ کل لراش زی سعادت وخر کی بات 


بو ڑرات رکرناچا ہآحضرت پا کی کوپ رک نے والو ں اتتا ارج ہے وہ ے چک امیس جقت می ںآحضرت خلا 


۱ کی رفاقت و مھت کار ف اکل ہ رک عقیقت ہے ےک وولوں جما نکی تا نس اکر ایک طرف ہوں اور وو ری طرف امت ہوتو 
اوت وگ تار سے تہ جائ ےل الآ وک میں من ک موب رن اور اپ ل 


ظا ار ےت ۱ ES. ٢٢‏ لاقل ۱ 
ےک نی عار ےکر رسب EY‏ کل افو ۱ 
92 وغن اب هرقا :قال رسۆل اللوصّلى اللَهُعَلِيْهِ ومام ْمَك ہشئین عند ادافين قله جرال 
شَهيْی؛ زوا القن فی کنب الزّهْدِلَهُمِنْ خث اہن غبّاس۔ 
او رحضرت الوب رڈ راوگیج ںکہ سار ر وعم لت 9 و 0+ س نی نے میرک شت کوریاں 
جا ںکوسوشمیدوں لا واب گا تو اتی نے ے روات ای کاب زپزش اہن عبال س لف کی چ ۱ 
اش ے م اچ کے ےک وج ے ےک مسر ایک 2 شحہید دن اسلا مکو زرم رت اور ان نکی شران وش کم تکویڑ ہا ےکی خاطر 
وتا ام بیس ھتاہ یہاں نک لہ ا جان ی 2 کی ر ج پک دن یش رشنہ اراز ی ہو نے گے اور تہ نما وکا 
دوردورہ موتو مخ کو راج کے اور علوم تیوک کو چیا نے مس نے شا ر عماس و الیکا امامو ہے پل سا اوقات ال سے بھی 
ازیو یں :شال ل ہیں وس لے اس یرٹ دک ا ہی ال یم قرا ےب گڑہ ےل میں 
ل ج خالی ےنکر کورہ پار ت میرک شاه ے ھار ے۔ ِ ۱ 
۱ 3 ون ارعن اچ صلی اللعَْده سم جي انف غتزفقاز لَانْسْمَغ آخادِ 0107 زی ار 
كت بَفْضهَا:فقال: ام مَھََكُزْح ام كما هَت لَھُودُوَالْصَازی: لهد كم بايطا نة لكان مۇسشى 
: ریشمش فى كەاب شی ۱ 
”اور حشرت چا ۲ ت ہن 2 جح تو عسے تر جھ یٹ 
سے ہیں وور وہ “ہیں کچ طررح مغلوم ہوٹی ہی ںکیا آپ نت اجازت وت ہی کیہ بحم ون یس ے کرک میں ۔آب 8 نے فربایاہ 
کا گی اک طرحع ران ہو تی طرع بیہود اورنصاری روا پں۔ ( ان لوکہ)پلاشیہ مل ہار سے پاک اف وروی شریعت لایاہوںء 
۱ ارم ویزندہ ہوئےتووہ؟ بھی اراچ روک ر ہورہوے۔؟ (en‏ 
شس :فرت کت عو سس ا فی یی یتید 
کی شی کی مکو درد سے اور ا سے خو خر ولاک عا کی خواہشات کے فی کت ہیں ہیا اط تق مبھی یک اتے دی کون و 
ل ھکد سروں کے در ریت کے ماج دد چ بد ملک میرک لا وی شریت ایک ورپک رج موی 
رر ہو ےووہ “کی بی ریت کے بد وزمیر ے ھا کر ہوے۔ ۱ ْ 
فا رخ ان سيد الْخذرقِ فان ازول لس لعل وسم ره اگل بوعل فن نوا | 
اش تودقاڈ ل جن از ج :اشۇ الله هدا اَبزملکینڑفی لنَاس؟ قَال: و وَسَبَکُزِن فِی فژؤن بَعْدِیٰ۔ 
اروا ال ی) 
و ادگ کک سرکار رووا ۂ HE‏ ےار اراي سس نے عطال(رزقکھایا مت کے ریت گ۰ کی 
اود الک تی یں سے لوگ و رسپ تو ردجت جل راف وکا ییک نے و لکا ر مرل اھ ےرک تو کل ہے ں! 
آپ نے فرمایا ٭اور رے لجر بھی ری لرک ہوں کے“ رر ` 
تو سے سس ہت سی ہہ یف ۱ 
ورس ےنت ا ےت کرت مر ری کا ینہ یت رک ۱ 
تجازت یس خرید وق وت کے وقت یس ایے ری اختیا رک رتا ہے جوش ربعت کی تریس جائ اس نی تو ام کاکمایاہوامال اک وعلال . 


ای ٣٣۷‏ ....____ ود 
نکر ےگا۔ہاں 7 7 ET‏ 7 توک کا طال مرک ٤‏ 
ری نھ ظرے ارت می سا لکا کے ے یہ شرا سک سی ما لکوفروض تکرتے وقت دتعت رخ سے لن عق تا ے 
رت او رح تق کے ہو کوئی ری لخت رکرے جوش ری طور یر ف کے ہو ا ااال ال دطیب ہوگا وروگ ہی کے 
برغلاش ک۰ کا تو ا ی کی کان مرل یس ہوگی۔ خا ی اج رے کی تو فروض تک رن کااراد وکیا اور عق سے کل دوک او فرب 
د ےکا خیا نکیا _ کے ٹس چ زو فروضتکرر ہے اس شی ںکوئی عیب ہے لین اس نے ا یکوت ظاہرکرن ےکا اراوءکی تو اکر جر عق تی 
سے ذقت ایاپ وقبول ش ری طورپرہواہونگر ا لک اک قاس نی تک وج سے ال کاکاباہوامال علال یس ہوگا۔ یا کی طرح قرو شت کے 
ذقت ج بکہ قد تن وا جور اعت کے بح اجر کو قاس دشرم اوی جو جائ ریش ہ آو اس صورت یل شیا ا کاکمایاہوا 
مال ال نیس :ڈگ یھکد ارن ےکی چ وفوخ تکیا او رخ بارس ےکر اک تن موی ین شرا یہ جےکہ اتک نوی قر ب ےو اکرو 
وگ یہ جرگ طورے جا رکش ےا لے ان اما ل کیا مدال ال یں گاب ٣‏ 
" ہیں وس رن رر ری کو O‏ سنا 
ا ںکاکمایاہوامال جال رہے۔ پچھریہ بارت ای مولولی یس ہے۔ ب اک رن لاز عت اور ز رات و خی ہکامواطہ کیا ےک وان 
زی ریتے ا ترصال رز کے حصو لش کار یں ) 
میٹ مل رٹیل ہش تاکے لے و ماوع قرر کا ےک شک کرک پر ھی کن ک۲ اا تیوک ت 
۱ ات شش وی کے ما ہو۔ انگ وو اہ ود دات کا یسلت با اشرت ہپٹل ) 
مت تیو یی اورا تا رو کا ہہ وور تد ۱ 
ائھ اکال ے روشا ماریٹ ادو نے مان نیک لکیااے ہل 000006۳ 
تحلیف رہ چڑے سا فکرنے کے ارہ میس جو اعادیٹ وارہ مول یں یا سے یکر ہے اون ا کو پیا 
ات 
نی ٹاش موا رق کالب ی کہ ہرے با ےی توا یوک پت دہج کور اماف سے شمف 
کو لو ےا کے ا ی ا نے لوگ ہا جائیں ےہا ؟ نیہ ایت رہاتاے۔ ) 
ال کے جواب شآ خضرت کا نے فرب اکنہ مار ے بعد“ کا اک ہوں کے سنا ںاھت سے ترو لای اکل efa‏ 
×ھٰ ےک ہآخرزاشہ شمن چ بک فقظفمادکاووردورہہوگا ابی لوگو ںک یی ہو جا ےکی کا چ کی ہی شہ ھا 
17ت ناس زی مل جو عیشت کے 7 دای کے ادر انوه ر ین بے ا تا ۰- 
۱ دنم ہیں گے_ ۱ ۱ 
2 وَعن ن هريره قال قز شون فلو صلی غاب وحم رگم فن زعا من تر کم غغرت ¦ ایرپ 
ْ هَلَلَ اتی رمان من عمل مِنْهِْكُخْرفا أب ربو ناد اترزئ . ْ 
”اور حظرت الو ہرز دک ہی کہ روتام پل نے ارشماوف اقم ای زمانہ می م ہک اکر می ےکوی اناا مکاوسواں 
سے ی0 و رے جو نے گے مج ںتودہبلاف ہو جا کا کن بج الہ آلرکوکی لا ےد سو تب“ بی 2 
گر ےگا لوچا ت پاہاے ردک 
١ 6‏ گیا عد یٹ سے پر رمات اورا کے فرق اچ چاچ ر دی کات نس ارم رو فی ج- بج 1 یقرت 
او رت کے اتھ ھا ای ول“ کت مہ کا ھی نین زا نزیس ج پک امیا لوف ئن رم 


خطار ہو ٰ ۳ے لال ٰ 
اتال سراہوچا گا اس بت اہ ےا اک کروی سام یسوی با بھی ارم یکی نات کے 
ےکی وگال ۱ ٰ 
9( وَعَنْأَيیْأمَامَةقَانَ:قالر سل للضلی اللَهُعَلَيْهِو سَلم «قاصل قۇ بعد دى ائۇا عليه إلا آؤٹر جنر 
سس سس سس بیشسسہت ٣‏ 
زرداہ اتر ړک د ات اجا 
”او ر ضرت الوا ہیا سے 4 çenk‏ ئ8 إ9 ںول 
۲ گر سی وقت ج پک اس یں جھکڑا را ہوا۔ پل زآنحضرت ات سر رر مَاصْريْهُلَكَإلَجَلابل هم قوم خصمۈن 
فراع ھجم : :وہ ہار ہے لے یس یا کے شال رجھلڑنے کے لے کے دہ بھزالوقومی ہے۔* اھ تو اٹ ماج“ ) ۱ 
) شر :اس حرف سے معلوم ہو اکلہ دی مواملات اورشرگی ما ی میں جلع یس ماس اورت بس و 7 ان یس تیم کے2 
یلانے جا ںک کہ ان مایق شس رایت فاقوا مک کرت ی کات ربب یہو اخ اک ارگ دقی موا لات مل ےر ہے تھے ۳ 
رک عام سوء اور تسان خواہشلت کے ملع لوک یکرت تھ اس ے ا نکیا مقھیدیہ وتا تھا کوک مجللات شش رقہ براہو اور 
) ال یس میس نڑنے ر فیرح الہ نملط عائمر اورا الام پلوقرو نو او کی او 7 کیا یں Î‏ 
و سد نے جوآیت لازت نرا لکاشان نول یہ ےک ہج بآیت اک ومَاتَعْيْدو وَمِنْدُژن‌اللِحَصَبْجَوَئو" ۳ 
ڑادے سے رین مم اور وہ اللہ یں وروز کے این ازل رن تو و مت ری ےکوی ہو ئے اد کے یک ا ایت ۔ 
سے علوم پو کے نے یرال ور ڑں و سب وور شس ای کے اور حضرت کی علیہ السلا مکی ارک کے مووچ ج ویو 
با تک سے لاد جیا آیت کے ماب دو زر مل جا یی کے اورھار ہے بت رت سے ژسشتتنہ ٰ 
8 تح زی ںکہ ہمارے بت ی سرن بی کے سا رور ای 
۱ می نا کے اس ما نظ کے روم لت دکورہ حا رتالب ازل پوق جس کا طلبی ےک رےکر 8 مرک ۲ 
لک ا آی تک وک نکر سے جرک ٹ کے ہیں او ا طرف سے غل کی مراد نے رہے ہیں دوخ ا نکی ھر ی اورشدے اورے ۱ 
اسع و ارت کے طور پر ایی اط با تکہہ رہے ہیں عالان ہے صاع ب زا نی او رع فی ٹربان کے اول وھ ہیں معلوم ہیں اور 
7 کی ہے ہی ں ل ادون سے کرو رو سے بت را یں ا ےک انتا ٹور ای دال ےکی م ی دی ا'حقول معبوروں سن 
قرول و فی کے بتو ل کے اویل ے نہ رک نیت سیاعلیہ ا سلاماوخداکے یکر نیک ورے ا میں شا ی یہ ۱ " 
HOR‏ اکس اسول اللو صلی ال عله زسم کان بزل ایز غلی شی کم يدد ال غلیكم ون 
وما سَددۇا على ار شيهم قعل الله ليهو ك بَا هُغ فی الصرامي ايار «رهباوة تع اتبا ها 
لچ )ردا اواد ۱ 
ورحفرت اک کچھ ہی سک رار ومام ê‏ کے ےا کان پر کار ےک کی 
و E Ff‏ اک )ےا ۓے ل تھے یا تہ اد ےکی کی 0 و م ومول او ردیا رم کے اے ا 
1 یس لولوں ےرا الا ان ی سی ۳ "رادي ٣‏ 
ڈ0 مطلب ے ےک ای امو نکوخواہ گرا و زیاو و حشت وق مس جلا کرو 7 0 
) کو ہے سسوسیت ملیھة دسکی صخشت کر ایی پچ ںکر 


مظاہری پر f‏ : ۱ ہہ جلداِل 


22069 0ون‎ DS 
قت م ڈوک تو قرا جزو ںکو تہارے اور فرش لکر ےلین تہارے اندر اخ طاقت اس ہو یک تم ان کے صوق اداکر‎ 
۱ سلو تی شی سآ خر تک تا یی و امت اتے وہ نے لوگے_‎ 
. صو اکس مج کو گے ہیں ما عیسائی ارت کی اکر کے یں جج ےکر چا ہا اتا ے اوردیارکہود کے عبات 0 گے‎ 
اک ط ر رعبانیت اے کت ہی کہ عبادت ورات بہت رارک ہا سے ےک کو شتتو ںاو رخکلیخوں یس ڈالاجائے رتا سے کل‎ ) 
ےکا بوجائے ترام لوگوں سے ہے کے اٹ کے پیا مکنا تھا لک ر ے ۔کررن مل رج یاندظ نے قوت ھرد ئیکو کر نے‎ ) 
کے لے فسا خوا شا تکو مار لے کے کے کک خی فطرىی طور نی حریا لوضف کر ڈانے اور و اواز ر یکوک چو کر جلو‎ 

ہار مر چا ر7 ڈال لے جاک رمیا إا 9ص0 00.0 2 رک اور ان کے عاپرو زا روگ ۲ایا کرت جھے کن 
ٰ چوک رایت اسم کے فطرکی اصولوں سے پلک پرا اونگ ہے اس لے شریی ے٠‏ بی ا کہا اروا .“0 
با آنحضت پا نے رہبانیت اسلام جس ناج ار قرار وک ے اور فرایاسے لارھبانیةفی الاسلام اعلام ر مایت جار _ 
یں نے لہ اس مر یت سے معلوم واک رہراشی تی کی آ ال دن یس ضور ی یں کی ب خود ای وک کے اس وا لے رببانیت ‏ 
کو ای دیو دنیاوئی فلا وکامیا کاڈ ریہ کے ے نان یہودونصارئی می کی لوکوں نے شود ای ان تو ںکا تر کیا تھا اور ای 
i‏ ولیس اخ اوپ لاز کر ی یں وش ری تک ہاب ے ان ر وض نکی یں لیکن . و جو فطاع خی تل مزاج ۱ 
وشات تشر ی نتر نات وی ا لے ود ےا را کل و شی POE‏ 
ران کے وناو اکر کے اور وہ ان تقل زی ےا ر ے2 0۴ تی ہایس ان دیع سے گر تھ دعو نا چان اکڑ 
۱ لی ہے دن سے تحرف ہو کے اورانہوں سے مہو نر مب تو لک رلا ہت سے یہودییر ہنی تکوچوڑچھا زک فص ران ےک طرف 
انل ہو نے کے بھی تھے جو نے وین تا ام ری یں تن فک ہآ آحضرت نا بازاد مایا اورآپ E‏ ياتلا 
ہسرحوال آحضو رکےارشا رکا مطلب۔ ے ےہ اکاطرح رہہائی تکواختیار کرو اورد شی فطری موس میس ری افو ںکو جا 
سب سوس سیت یں کے اندر زنر یگزارداورشھاون سک رسول نے جوف E‏ ںوی ارا اکرتے 
رو ٰ 

2 وَعَنْ ابی هُریْرَة َر َال رَسُوْل على الله علیہ وَسلم ال لا على فة وجه خلال ورام 

م ۾ ومتشابه اننال فاحلوا لْعَوِنَ َحَرِمُوا لرام وَاعَمَلرا لحم واملؤا بالْمْتَشابهِ وَاعَقبزا 

) :هن لگ ضايح وزؤى لهي فن تب الما راطا اغْملُوْا بلْحَلال والغیٹو ا الْخَرَامٌ 

وَانَغُوا الْمْحْکُو۔ ٤‏ 
اور ضرت الوم رة راوی جس کہ آحضرت کی e‏ ری ور 
® کم ع تعر ۔ ۵ :شل اذام طا ل ھل چائ ا کرام مائو کم ل کرو تشاب پ ییا لاک اور اال (آصوں) ہے 
رت واک کرو ے الفاظ صان کے ہیں اور تی نے جور ایت شحب اھان می ات لکیہ ات کے الفاط یہ ںیزا ال گل 
کرد ترام سے بیو او رکم رکیپ رو یکرو“ ۱ ۱ ٣‏ 

22 زان شرف اپےاسلوب میا نہ کے ار ے پا طر کیو مل ۲ں ج ع ل کا 
اور ای کے اکا جائے ےہ © ای 7تس جن یس مرا ماک کیا ہے اور ال کے اکا بے گے ہیں۔ ©۱ DIVE‏ 
2 00,7 شاف ے ب ووا سے متص روما ماف یرک در 0 دواو توالزکوۃ وی 


ال سے . > ۲8 5 جال 
ازو اورز اکر می میٹ ای تی اتی رکہاگیاہے۔ © ای ای جم یک مرو یں چاو ان کل 
مات کی ظا کے سے ہیں کے يداللەفۇق ايهم [" سن !دی کا تھ ان کےا آھوں ہے )م رٹ ںا کی تی اجو ںاومخابہ کا 
ا ,7ھ یھ کی یں کے می وطالب کےکھور حکری یں کیک الن ر صرف ایا اور و ور 
تال کے نردیک ان کے ج رن عراد نیس دج ین اور ہیاک رجہ مارک رسای ان تک یں ہے۔ © بیس جن ہی صبل ہیں 
کے عالات دوا یا کا کیا کیا ے لین نیک اق مکی قلا وک مرن اوردا وا مکی ٹبای و ہرک کے واقعات ج کے گے ہیں ان کے 
ری فر ایا ےہ ان داقات سے کرت بد اور دی کہ خدانے اپ نک وسا رول پ او و خلت کش بارش 
اور کارو مرش قومو ل اتو ہدک اورپ اکت کی وادوں شلک کرت ناک مرقہ سے چیک دیا۔ ا 

(۴۷) وَعَن ابن عباس قال: ا سول الله صلی اللَهُعَلَيهوَسَلم زنر ولا ام ہیں ضْمۂ اف ۂ ومو غ 

فاجْتَيبه و اهو خف فو قله الٰی الله عرو جل ))( روا اما 1 

”اور ریت ابی ای رارک ہی ںکہ سار ر وام کا نے ار شا وف ماما ای وم نکپ رایت قاب رپا کی 

پروی کرو © وہ اھ ر٘ کی کرای ظاہرسے اس سے بیو( ودار چو لف ف سے ا کو ال تال کے سیر کر وو * (7۱١‏ ) 


۱ ت0 :وہ ام تم کا ابیت ظاہرہے ای چو یں جن کان و ہو نادان ور آبات و احادییث سے خابت ہو بے ٤‏ 
وق وکا و راجب نہوناہ ان کے ارہ فر اس ےک ا نکی پردگکرو اط وہ اھر نک گرا تی ظاہرہے ایی زی ہیں جح ن کا 
) ال وطامد وتوا فور معلوم زی اکر سمو ںاور ان کے غور طریقوں عم کر ان سے گیٹ کاعھمدیاجا اے۔ 
تر ام کلف فیہ ےی اچوی جن کا ان فور ےھ امت نہ :وک اوشی ہاو شتی ہو لوو نے ا کی نیف ہے ۱ 
کیا ہے ام راف ن وہ چزں ہیں جن کے اکا خا اور ر کے ر سول نے نہ جائے ہو ں کک راخت فک رے 
ہوں بے آیات بات اوقت قیامت کان یرہ ال کے ارم ھاس کہ ایک یں سا طرف ےب کوان 
ےی رامک خداکے سپ کر ود ترجا نے الا ہے۔ 


مضل القَْتُ ے ۱ 
© قافن جب فان :قا رشزز الله صلی الله علیہ وَسلم رشان ولب اإلسان زنب لمیاغذ 
الشاذة والْقَاصِیَة َالنَاحِيَةً وياک وَالشْعَاب َعَلَيْكُميالْجْمَاعََوَالْعَاة) ز٥‏ 
حضرت معازین بل رادگی ہک سار ر وعم مت ہے ار شاد رای شیا نآ ر یی ےجس طح کرک ہر ےک ددال 
تک ری یکو اکر نے جا ہے جور لوڈ سے ناک نکی ہوبارلوڑ سے درا ہویاروڑ ک ےکنارے یہو او ییا کھانیوں یش کرای 
سے بیوننجمبنحعت او رکا سا کے پچڑے رہو۔ ٣‏ ااا . ۱ 
291 :لپ یکن طر‌یھاہ کیا ی کیک کیا چ چ ا الک یواک چ ہہ لوا تت 
سے باکر نے جا سے ایی طرح ج کو شس خلاء دی نکی جماعت اور ال کے کرو سے اھر فک کے الک ہو چا اے اور ا و جا 
ےی وت نے ہب چا رنت سپ کا وا خاک ری فر تر چچ 
ہی تما ےکی ایا اکس شان کے چگل ٹس دی شر گرا تیک اتا ی کرک یکھاشیوں رجا متا ے۔ 
۱ اسآ میٹ فیا جک چاڑگ یں ے ب اا ماف یگ کور ایو شد اتا 6 


لامرن ہر ْ و ٣ - E‏ لاقل 
لالت وروی ے ب ری ہوک ہوں- ۱ e ٠‏ "یں ْ ۱ 
.تا زغنا بن ذُرَقال: کر رت سے ِتاذ حلع رة ال5م من 
)ردا اتر بااوراڈد) . 
”او رت اڈ راوئی ہی کی مرکا رر وھا م کے ےئار چام / ری رشن اف ل )را 
ہوا این ےا الا کاٹ ری یرون ے ال یا“ ا اداد أ 
20 دی رت سی حرط 7 رگ جماععت سے انگ ہواہوگا N‏ مت 077 
ے کیا آنزاد 6د جات گا اور ای یو ری او ری طاشوں و ےی نچا دک قورت گە 
رو ازاز اور کن ش لی کا یجن جات ےگا۔ ۱ 
© ون مالك بن ایس مُزسلاً قال قَان شزل الله صا للخ وس از ہٹوک راز لاد 
سکم بها :كاب الله و سنةز سول (ردادٹ الوطا) : 
”اور حضرت الک لن الس مہ رس روا تک ر کے یں رآحضرت جا 7 0 ) 
ہب 0 یس پڑے SIE‏ او ین ٢و‏ کے وہ لتاب ال قرآن ہیں او رنت ر سول اللہ (اخار یٹ )یں * زط 
3© وَعغن عُصَیفِ بن الْحَارِثِ النمالی ؛قال: لاج مر ری اتا اجک ا 7 
لهام الشنَوشَتَُكٌَيِشنَوَخَيزَنإِخذَابِبذخق وہس 
”اور نطرت تضاف لن حارث شال راوگ ہیک ہآنحضرت ان نے ارشاوفرای ج کول وم زر شن 00 نی 
1+ ا کی ایی سرت مق تک ومضبوط بنا بات لکا ےب رعت) سے ےک 
۱ (ھ ) 
شن 7 0.0 
22 ےکلہ لٹ وی کے 1 وروی رد یس لاسرا بے جس کے لوزے؟ ودي وو یسا می کے برخلاف رت 
قات وروی کا ہب سے ابیت الا میں7 وآب شوت و شرع کے طا جانا ریا کے اور جررے تال مکر نے سے ٹور ےھ 
کوک اک کو یفخ ان دا کی زوا یک ہوا یت اللا اتا ے جور یت سے منقول ن آووہ مخت مک لکمرنے والکہلا کے گے 
ب خلاف اس ک ےکن اگ رج در سے 3ا مک اور خانقائیں ہنا ہت اکم ہے۔ لیکن چکگ ووی عت تہ ےہ اس لے اس مول کی شت 
ل کرس وال ا سے ڈڑےکامکرنے وانے سے ال ہوا ای ےک واب شش تکاخیا لکمرنے والا اور شش کیب روگ یکر نے والا 
متام عرو او رقرب ال کی طرف تر یکرتا ہ ےگ رشن کور ککرنے الاقام علا سے ےکر ہے۔ نیہ یہ وتاس کہ ای یی چو ۔ 
لو اعلی ہو چ ں وہ یں کار نات پ الک کہ کیت ہتس کہ دواد ت گی کے مر چک جاتہے ج رای 
) اور کے ہیں۔ | 
سپرمال لر سا وجزے USE LE‏ ت 
اللا جا ناگی داب دی کے عطال ن ے توخ کی ہاب سے توق دی مال ےک وداک ے ای تک کل کر سے چنا تونق ای 
کاوت یتو اع مقابا تک طرف ال کی راہ نمی پکرتا رتا سےفرکارودضنزل مقصو رک گی جاپتاے۔اور جو کی سول شومر ک 


گرا خی ان مارت ول ےو ریت او ا سے آپ الا اور اصارے ی ۔ 


طا پم 5 8 براق 


۱ مرک ارتا ےتو کک ا پر یں واش چو ںکو یر فک را رما ے اور ال 
کا 6 ے ہر EN E‏ ا یں ر "0 لات واب ۲ 
کٹ ےا و رش تکونا ال اخقماء کن کر ] ايار لکرم معبیت اور وزاب غداوندکاسبپ ہے او رش کا ا فا یہو ےکا اظہارے 
ٴ ن 1 ر0 00 س کک د چا ےی 7ا یرم ںای ٠‏ 
گی ےکور کرای شا رصان فاا ت تکرش ککرہ اٹیڈ لئاس سے معا پاک تی ) 
5 و وی مو »فلار و عار ت اور ھر کاب حث ہے ادرب ر کت پچ کی رواو ومح ہوا کے متا بر ۰ | 
= 
.2ک رم خسان قال: :م قرا ذافن بی ل1 لان شیہم نب لوا يدق امال ؤم 
الّقتَامَة (رواہ الرارگی) ٠‏ ۱ 
”اور تقر ماع فریاتے ہیں کہ چ ب کول ای ام بات ن لص برعت یج جو ٹا کے ۶ ا تر تال ۱ 
7 یی ا می ےا ما کال لیا ےا شیج بکوتی بدرعتسیمہ رامو ےلو ای کے اتد نے اٹھال اگ چا اور : 
۱ دوش تیا مت تک ا کی طرف واو ای کا جل۔ )7 ْ 
0 وَعَن ربْرامِیم ن يرهال رۇق صلی الله علیہ زس من وأرصاج بيؤذ ان على 
هدم الاسر وا لق فی شخب امان مز سا ر ۱ ٦‏ 
”اور ضرت اراتم یکن مسر کس سپ نےارشا راہ کن غر re‏ 
دنچ شل ړول“ رت ) 


و ج کا ف کیک ق وا ےر بے بر ےک و کے اش ے کے 
۱ کیا ۶رت و اترام کول خیال یں ےا طرع وو مق تق اث ہوتا ہے اور ا ہرہ ھک ت ک تی اسلا مکی مار تکو اا ٰ 
) سے کی پر ای یل قرو بھی قا سکیا جا سے کہ 1 ا کیپ بتر شغ وشک تون نکر ےتووو وین وتک ار کو 

تمان چا ےا کے غلا ف اک رکو شس بک تقد تی لکر ےتوہ ال بات کا لہا ہرک اے گے جت ہج 

| وک لا ادو و مضبو کرٹ ےکاسبب ہے سس 4 ا ے .ےا رشلات تا ن3 ردیاج ا ےا . ۱ 

@ عن ابن عباس قال: ھن تغلاب ال اع مَافندهداۂ للهمِن لی الاو وَقَاهُيَوْمَ الِْيامَوِسْزَ ٤‏ 

الُحسَاب رف روا قال: من ادى بکتاب الله يض فى انی 7 َشُقّی فی الأجرة ثم تل هدو الاي فمن ) 

الع هُدَایقَلا تل شی )ررد رزی) : ۱ 
اور ےی ان یا 1 ہے ینک دنس ضس نے الب او امم س7270 ی قزکئرککھ ا ) 

لوال مال الي کو نیا شی گرا اک ےا رامرات پر للا نے گا( ش۴ 1 کو رایت کے رات اعت ق رر کے کا ار ور کے بھائے 

۰ اور قیاصت کے دنن ا اور سے ساب سے پیا ےگا تی اس سے مواغذ ہ کیل وگا) اور ایک ردایت مل ہ ؟ س ے تاب شک‎ ٠ 


_. سلً ل )کرای حسان این شابت ہے او ر کیت ائولولید سے انار اور زرگی ہیں کش خش ات ےہا ےچ کہ e‏ 0-0 
ج7 کے زات خلافت مس ۰ھ ںہو ہے سی سے سے 


مظاہ رک جرد ۰ ۲ ) کڈ ۱ ۱ نر الي - 


و کو ود کر اور دقرت لپ انت ہوگا شف سے یزاب لی ےکا ال کے بعد ایح ال ا 
اوت قرا فمن اتبعهدِات ايلو لایشقی ترجہ ال نے میرماہدات“ قران ییوگ سے fr‏ 
اورت آرت شل )رشت مو8 زین 
۱ نر :چک ر نکریمکا ھٹا اع سعادت او اکل پل کر ناز ریچ چات چ اس لیے جک را کر مو ھکر سے او رقرآ نکو 
می کی ہوش رکو ہیں ون کے مطاب ق اس کے علوم ومعار لوی “یکر ے او رپچ قر ا نک رم نے جو اکا ناک ے ہیزان > بی لکرے اور 
پرا ت کاچو راس ت نکردیاے ای پر چا ر ےآو نل کے لے ومن ددٹیادونوں چ محارت ورت کے دروازرےکول دپے جائیں 
کے دنیاٹس ال 0 و اک وچ رگ قرآ نک (پناراہب ہنا کے گا اس گناو و محصبیت سے پچتار ے کارا کے 
را ہے ےو ور ےک یسک ا ارت ںےہ و9 ا ای1 کی غدا بے شارت ںکا سای نو ساب وا کی دورد 
زاب میس شلا و او ت ٹس سب سے برک فلا وحعارت ہے۔ ْ 
۵9 وعَن ان مَسکود ون للم صلی اله علي وسم ضرب لمقلا رظ فاون جني 
الضَرَاطِ د وران فما باب مُفَتْحَةوَعَلى اواب سؤر مزخ وعد راس الصَرَاط ديؤن ایز يفوا على 
راط ول نعََجُوا وَفؤق ذلك داع بذعو كُلمَاهَم عبد أن يفنح يئا من يك اواب قَال: رنحك ل قف 
فاتْكَ اِنْ َة تہ تفر ابر ران الصراظ ََُالاسْلام وآ لَاَواب الْمفتَحَة مَحَارِم الله ان السُنُور 
١‏ مرا الله وا الاج على اس الضَراط مُرَالْفزان وأ الداع مِن فوقہ هو اع الله فى فلب کل 
ممن زوا زين خمد وهی فى د قب انان عن ثواس بن سَفعان كذ التَزْمِذِیُ عله عله إلا ٤ ٣‏ 
اخْصَریِنة۔ <.- 2 
اور خضرت این حور راو چ کیہ رکا دوعا م سے ار شاو فیایا ال تھا نے ایک ختال پانرا ےرہ ےکا ای پرعا.- ۰ 
راسنہ ے اور اک کے وولو ں ھر ولوا ری ہیں ائن واواروں شل کیل ہوک دروازدے ہیں درواژول پپردے سے ہو ہیں اور ) 
رات کے سرب یار سے والاکراہے جو ھار ا رک رکتاہے ٠‏ سیدھ داستہ پر ےآ نا را سے پیت لوا اس پچارنے و لے کے اوی(“ کے 
۱ ایی کے ےکھراہوا) ایک ذو مرا پچارنے والاے؛ چ کول بندہنلن دردازول می س ےکوی ور داز دکھولنا انا ےتودہ(دد سا ار نے 
ارک کنا کپ اول ےا ا کو ہکھول اگ رتو اس ےکھو لے کا آو اس کے اندرداخل ہو جاک کا(اور وہل خت یف میں 
و رآحضرت ا ےر ا لک وضاح تک او فرایا سیرھار امت ے مرا و اعلام ہے( سک ا فت رک کے جقت میس کے ہیں) 
7 اور کے ہوئے ررواڑول کے رار وہ اروہ جس ہیں ہیں الہ تیال نے تام رار ریا سے کو وخ کر گیل (سلام کے مال ے 
اورڑورواژڑوں )لے ہو ہروں سے مرو ال تھا کی قاگ کی ہو عدوو ہیں اذد رات کے ہے پر جو ٹکار نے وال کھٹرا ہے اک سے 
ماو قرا نک رم ہے اور وہ وو مرا ہار سے وال جو یک ار نے دا سے ک ےآ م ےکٹراہے اس سے مرو ال تا یک طرف سے شیک کر نے واا 
فرش ے جو ر من کے رل میس ہے۔ زر ؛ امم او رت کی نے ا روا تک و شب الائیان شی لوس بن سممان سے ف٠‏ سکیا اوہ 
22 ھا ا نے افیا ر کے ما تھ یا نکیاے_“ 
نت 20 9 7 ا 0۷ 
جو نی طال ہیں ان کے پاروش بھی اطا نار واا ے اور جو یں ترام ہیں :نک کی لص کرد نی سے او با گیا ےک یل 
۱ شرع علا چزوں مک لک کے دای خوشفودی ود ضا سے کن ہو کے ای طرح تام چزو ںکو اتارک کے مزا کے مستوج روا ہا ۱ 
) کے چو ترارد لا کے اوردوں کے رمیا ف ات اپ اکا سے دی رک زل کین سے ال ے ارز 


رحن یل سر ۹ ) ائلرائل . 


کرکے رات کاراب کے کاک اوردد دو اک شال روون رر دوں ےکی ۲ : 


رکایے۔ 
| بیط مال ج کور E‏ ایی زرغ ہر > ج رقب کا اقا وا ےج کا کام ناچک وہ 
کو کی کے رامت کاس کی کرے وی ںکوتاتی ایدو رقو خد اوت ی کھت میںاگ کک بتر سے کے ساتھ انید انا وتوی خداوندل 
۱ نہ ولو انسیا شا انی اے ہدایت کے رات نی کک لا چنا مہ خال مس قرآ کرام تا کیا ےگ رس کی طرف ؟ بھی اشماردکردیا 
ھت انار بھی کوت تک رآ مول ےج بک ٹر ہے سات ایر ال او رتو خیداوندگ ھی شا مورآ تورات 
اد ے اورسدھے رات پر ھک ےکی برا کر 02 ین ما اک رن او ال راپ لکل متصور بک وکا کی 
رقت ہو اناس کہ جب پتدہ کے ول شل خیداکی ہاب نے دا یت ڈا ل دک جائے- | 
(@ زع ان مشغزدقال هز کان متا لسع بم قَذَاتفَإنٌ لح ل ؤم عل لفت ويك اَْحَابٔ 
محمد صل الله عَلَيه وَمَلْم گاثوا فصل هذه هابر نون وَعَمََهَا عِلْم وَفَلهَ تكفا اَمَاٰرَهُمْ الله 
لِصْحُبَة ييه ولا قاهة وزیہ قاغرفؤا لهم فطلم اغوم على تارجم گا ہما اطم من الاقم 
وتر هم قفانم انوا على الھُدی الْمْسْتَقیْم۔ ردا رنین 
تتاو رحضرت این سور نے ہی ںکہ ج نی کسی ط ھک پر کک ا چا ےتو ا کو ھاس کہ ان لوکو ں کی را وا شا رارے جوم کے ہیں 
کوک رند ھآ دی زوین کل )فت سے فو یں ہو تا اوروط لوک چو کے ر ں رادرک چو کرٹ جا سے )آنخشرت ےا کاب 
رجو ای قت کے رر لوک سے رلو ں کے اتتھار سے اناور ج کے ییک م وتار سے تھا کال اوہہ ےکم کت کے 
وا نے شتھ ہا نکو الد تیان نے اتئے یکی رفات ادر اپنے وین وتا کر نے کے کے کیا 1 انکر کو ییاو اور ان کے 
تق پک و لکر درا مدان کراب دخ نکر رو ےک ویک ایت کید ےد ۱ 
پگ ری ا 
شع :سے ہو ے لوگوں سے مرا کا گرام روان اوم تین میں اورزندوں ے ابی حو ا کے اوک اور 
۱ مالین م ہیں حطرت مین وو نے ارش اوتا کے سان از راہ تحت فربایاتھا اود مو ساد ےک اس دو رس چوک پل فرتے 
لے گے تھے جو ا کرام ی ذات اقدرس کے کہ ان کنرگی و فلات کے کی لیے تھے جن اک راک او رین کےگروہ 
اس نا کک قل میس کے ہو کے کے اس لے ابی حور ےا کے غا الزات اور کاڈ پان کے بیان کرش سا بک | 
مشت ور اوران کی فنیات ۲ اپار راا 
اک امن مسعود ر شارت سے ر سے ہیک ھا اھت کے بن رن اور اناو رجہ کے یک لوک کے نان ےتلوب اببان و ) 
,۸ئ سے پوری طرح تور کے خوش د تا ست کے اوصاف سے تحرف تھے ایا کا کی رولت سے شرف تھے اور نہر 
نیس و تیت ابی سے اک زئ رکیاں مہو کی _ ١‏ 
رد ور بات دس رت نت ا یاآواز و a‏ 


29 پلا کے جس ن وید گار ہے ٹس کے تی ہس !نمی جن چاڑکاہیوں وور مصییتو ںکاسام ا کرنا اوہ و اور شددوبربریت‎ 7 ١ 


کل وور ےگررے اورا و سے امام ی شاع راء کے لاہ یس جور ایال یو اتارک ب پاب 
۱ جے۔ 


چا راگ رت انا دانے ہا کہ امقر کور سول نا ل کارت ارات ری ا ۳١٣۱‏ 


مظاہ رت جرد 5 کیرٹ سج بلاول ٠‏ 


3 FETE TTT ORF ER EET 
۱ ہو کو سی کیک تھی جس سے ایس سایق نہ پا ہو اوریے سب تاک جانب ےک اس لے تاک ان کے قلو کو ٹوب‎ 

) پک لیاجائے اود وک لیا چا کے ی ی کے چلانے کے سے ا نک وخ ہکا ہار ہا ے او رس رسو لکیارفاقت جی ےلیم‎ e 

صنب کے لے ا کون رکا جار ہے ا کے زان وکر ا ورول دد مغ ال کے لی ہیں پا یں ان کے قلوب تو ںکوبر داش کے ٠‏ 

ےی اور مشلات پ برو شک رکرنے واسے ہیں بای چاچ ا نآو قان می ڈالاگباہے :زان کی اود عشرات شقان و 

7 آزرائش کے مرغ سےتامیل بکزرے اور محیبت ہر ریس کٹ رن م وکر کے ان کے رور ضا اجب اتان لیا و ے 

" صابر وشار کک ھک بڈڑی سے زی او رت سے مخت یہت بھی ان کے قم یس لخو لآ ےکی ہجائے اور اتقات رامو اور ) 
E‏ اتاد کے اتتا خوط چان کے ای نیو فک ات قان ےا م رکاے 


اریت رن شن لزه ری ارت۳ 
"و گار دی 7ر0 ن کے دلو کو الد ئے !دب کے وا جار لیا ے_'' ۱ ۱ 
بل خلم وش لکیکسونی پہ ان تو ںو رکھاجاتے ولا مبالفہ INTE‏ بر 
کر ھل وش نار تاجن سے رنیان ےش یل کے اس اتول م کم وتر مہف بب دشرافت اور اضانی تک روش ل ) 
گیا۔ چا ہکوئی ریت تفیش کن تی توکو فت وقرا تک ایام کی کے اتر توف وف رک مم مور ےکمال کے سا تھا وی کے 
اندر عاذ ادب ۴ کارا موجن یا کہ ایی اتی کہ مھ جییت ےکی کا ی و مل تھا۔ او ری آنحضرت E‏ 2 
شرف و کی تک اث او رآپ اکم ساز اکا اہن مرف مھا اک ورت حای می مومع رفت کے 


) آفاب رات سے : شر ہے کے کے ا نان ص۷ کرت تھ۔ 


اید اروگ لت ساوت کےا یم ر ہرتے ہوئے ا مقوی فرت کی سگ ےا ایی کی 
ووالت وُوت؛ ازارو ر ادرک وو امت کے ما اود ا یس ےپ ۲و پر ما رجا اور نہ رن وف سا رمازڑجۓ لے نے 
می سکوٹی شرم موس مول ی ساد کی میک یکی کے بن دبا ا لیے ےے می سکوئی کلف یس +رافارورے ‏ 
لوک و ں کا موا کھاتا اورچنا ان کے نزو یکول مو ہنی کو ا ال ا ا ا 
شرافت وہ زی ب کارا یں چو ڑا کا کرو وی قوب قول سےکوسوں دور ہج ےکا م وواک سے جوضروریاورپامتفیر 
ا یک جومتلہ اا معلوم دہ ہدشار یت ضفائی نے ہہ و ےک ل یہ معلوم یں سے اجکی کی رع خواہ 
اہ کل فک رکے مھ دا رتقریری یکر کے من ےکوبلط بلطا با نٹی کرت تھے کہ وہ ھے اتے سے ال بت سے ہابت غل کے 
ات ما کوان کےا مھ وسک ا سے وریا کرای حصو ل:عل اتا ش وق تھاک ج کو مه شنا سے سے کے :خوا وو کر ۱ 
7 می کنا و ول د ہو استظاوہ کے لے اس کے اس جانے م کول عار گر نمی سکرتا ما ۱ 

یساکہ ج یاس کہ ان کے یہاں زی کے کی کی شعہ می باوت :مکو کی س مو ی بہاں ج ککہ دارگ ار ران 
لود اکا ویاو کے رای کے پہرے رق دا کو ڈوو ےکر فا ی مل یہ ھل پت تھی ہی اک غر 
اواز باکر راک و کے ہا کے بے ہوں۔ 

ی عا لاك کے پال ن کا ھاچوک ا یس براوراست سرکاروو ی 5 سے قرب وعحبت کاشرف مکل تھا 090 
پد طرح اد منرم ترارش کک سج سوہ سب یقت کی انال بلن ہیں ب تے؛ 


8و ٹکٹ سس .×۰۹ E‏ 


۱ کو رہ ےت ہوا کاشور شخ کے اورک وہ ۱ 
۱ نے قلو بک صفالی کے ار م ونم کے ای طی کی ھاپ پہ او رتوا یجان ہر حصو مرف تک زحو یکرت ے ہی اک ہآ کے : 
ذو ا ا کے ارات پر ان دیات سے تصوف و طریقت کے نام پر سرو رکف ما لکیا جانا سے اورت وہک آم وشم سے ۱ 
.۔. پاحعث علقہ وتاک یر کرس رکچ کر سے تھے لہ تہایت اوک کے ساتھ ھے چان مو ئل ساسا وی ماد ای میس شات عرد 
سول کے سا ھ مشغول پو انا اک ک ا وروی کے فقو ان کے را ےکر نمی پیر | 
کر یمان کی ی و کے سی یروس فی با یں ہے | 
ا کاطرز مجارت کی نے وبناوٹ او رکف ے کل اک وصاف خما یس جو میس اوی کی لمت 2) 
موا چوا 007 رطا سے اشوا کیا ٹیش تھاکہ ویاو رکلائے کے لے یا اسیے زہدو لی نارعب جھانے کے کے 
رق ری ای یلیا پال اسے اوی لاز مک ر کے ہوں» بال 0,9 کی باس رپوا ووا ے بھی ستوا ل کرت کیا نے ین میس ا ا 89 
کہ علا ل رز جینا گی ہوتااکواتے تھے ہزیر ادر لزز ری مشک رشت دودح اور میدہ و خی کت اگ میس ہو تو انی بھی 
) ہا یت ڈو وشو سےکواۓے اور الرروكي سوکھادال وہای راد ےر جا آواسے گی بات اس7 شر ےکی لیج ۱ 
) بہرحال عیادات جو لیبآمواما ت٠‏ الال ویارات ہول: ات رک زی ےو ار ان ے بان ا او نے 
کی وساو یکی اورانہوں نے اپ ے لظام حا تکو ایسے سا مس ڈ ھال رکا ھا جوا الاک ری اور اغلاق تھا اورے سب کاو 
: ےی کن نت نت ٹر تھاجوخود ا سے تول ودب رلی ناشن تا ری (ی خراوند تعالی نے کے ارب 
اور ور اوب کے اناگ ورج ایا کے مطاال ادبو لاق اد تہب شراشت کے تام جواہر ازل کے اتے اثر ر ٣ے‏ ) 
ہت 7 و7 تم دنیاکی سب ے زار رزب تب مت رل + اور راه تھی اصلاں ور چت رای ے7 دیپ وتران ادر 


اغلات وأ مان کے اک ام رح کک اوی چنال نہ سرف ےک دہ خود ای کا ادر تو امت مول کہ دید دسر ومورنے i‏ 


ا ےر مکواپنے ے جار زل ینا تہ زب وتر نک ائچائبنزلوں برک 
۱ کے کر کی رٹ ہے۳ ون کک رایت فرارے ر2 f‏ اک سوسحم 2207 و پش نز 
ے_. ہو ئن ایز حبر مزل جال متا یہنا جات ہو وتہارے لے رو ہے نہ اک میرک اکٹ کے را کو انتا رکرو 
کی اغلا وعارات اواس لے چاو زل چاو | ای ایاتب دچدی ار زرل مھ اور نکی یرت وگب 
۱ سے زندگی کے رگوش 7ر م٣‏ ید 
اک لہ ای بات اور چ یی ا ےار شاو پظاہرے معلوم ڑا ےک مھا لے ہیں انیس 
ٴ کیچ روگ ذاطاع تکرکی چا حالاکمہ تمد ی وتا چک پروی کے لا کاک ہماعت ے ٹواددہزنرہ+وں یا االرپاے رصع 
ہو ہوں مر دو ںکی سیق صرف سے ےکسا ال دت اتقال راچ تھے درم یہاں 7ند ادرمرددرولوں ا 
یا . ۱ 
E O‏ 
> تھے اور وصدات کے قیو لکرن ےک لاحیت پدرجہ تم نٹ موجو رش او الل تال نے دیس ا ہے کیک راتت کے لے کے 
رای ادرت ران یس بای لور پان کے شل وکا لک شارت رک : 


" لمهم كلمةالئقرى لزا يرالد ال۱ 
”اور ان( اب ) و70 ا رکھا اوروها ےنور اا لیے“ ۰ 


| طارق پر ا ) ٣ PF‏ لھ اڑل 
ا اہ کہ پد گرم ےو کوب زرل چان ھآخزت 8 مب ارک سے زار 
ورور وکن اور اک وصاف تھا7 اوو روت اک می ووت را اور کا ہے قوب گا تید اک دصاف اور الوا رز 
الو بے یل راق ت کے نے پرا ٠‏ ) 
: موی ے بارش و سس تھے ولمس ۱ 
) رپ رکی عحبت اور ان کی تیر مت و املاع گار کا دجہ سے وہ سک عل عقام عا٥‏ لک لین ے توکیا ہکن س کہ حای کرام وق 
زندگیا ںآ خضرت پا کی مت یلاو ای ری ںپآپ E‏ ضرمت شش صر فک ر دی اور وکال م کید E‏ 
2 وَعَنْ جَابراً أوعُمَر بن الْخَضاب رَضِی اللَهُعَلْهُیْ 1 پا ا ا LAL E‏ 
قال با شزن اللا هة من افكت فَجعَلََْرا ووه رسۇل الله صلی الله عليه ولمغز 
رز وی اله عه انك ارال تا کری اوخو ززل اله صلی الله عل وسم کار غبر لی وخ 
۱ زشزنِ الل ضاي الله له ولم انز بن عب الل رعشب مولو ر ابال ربا زمر 
ويمْحَمَد تا فقا رمل الله صلی الله عَليه وَسَلَمْ وای فش مُحَمّدِ ید واكم مُژسٰی فاتیَعَتْوَهُ 
َتَرَکْكمْؤنِی لَصلَلمْعَنٰ سء السَہِیلٍِ وَلَْكَاَِحَبَاَاَذْرَكَ: لا )اددام الدارنا) :. 
اور شرت پاب راو ال کہ ایک مر رت مر اکن لاب مکار روعام کا کے پا ںتورا تکا ایی سے ائے اور سکیایا. 
رسول ایا ے تورات کا لے آحضشرت ین نمو رے۔ چ ر ضرت ر نے (آورا کو) ڑھنا ترو اکر ریا اوھ رخصہ سے ) ) 
خضرت بے کچ ر ہا رک ہے کا( دک ےکر حضرت اکر ےنا تم راک مکرنے والیا ہی سکرس کیا آنحضرت چ 
i‏ کے تر اقی ری کے لی کو U‏ گت حضرت خر نے آحضرت کی کے ج٤‏ و کی طر فک ڈو اور (خحصہ ےار ر کہا س الد 
کے سی اور ا کے رسول کے فص ے نہ گناہ :ی اش تھا کے رب ہوئے الا کے ری ہونے ادر مھ کو ےی ر 
ہونے پرا ہیں آنحضرت خلا نے رای ج ذا تیا کک کے ت میس مدکی مان ہے E‏ 
توم ال نکی پچ دی یکر اور کے پچھوڑ رے (قس کے یش انم سید ہے رامت سے بن کک گرا ہو جات اور (le‏ کرمویزنرہ 
ہو کے اور ریات بوت مان ےووہ( ی قا ری ی )ییو کے" دارگ ) ) 
2 :مل زکلنک الٹو ال کرک نے والاں سکرس رو یصو سرےص کی E‏ 
EE SIO E ES HERE‏ 
ےکس یک وت بکا اما مقصود ہا بی ےکو ات بے کف قا طب سے ای موت رج بکد کی تاپ رکا کو کی یں کے 
ربا وتایہ ےک یھ ٹا جب ےکر ھی ہو بات بی یں کہ ر ےہو۔ ۱ ۱ 
ا ایس ریش ے معلوم ہوا کراب وح کو چو وکود ومارک و رما اورا ینوک طرف بے رورت رجو اکر 
اور نک رف اقا کرت ماب ٹیس ہے کر يرز یع 
۰ك ون عل قال: قال سۇ صلی ل رر رش سے 
ونم تغط . ۱ 
”اور ترت ابر ٹیہ کہ سرکار دو الم اتا 20 ٣ب‏ اشر مر eps‏ 
اا وت حص 0 نو رتا ےر ×× ًْ ٴ ۱ 


ا ٠ rrr‏ رال ' 
شر :ا ےکی لفت م نکی ت کو مشا کے باغ وک وی کے ہت ہیں کی کہا جانا ےک نسخت الریح اٹار الق وم کے ہوا 
۱ نے لوکوں کے پاؤڑں کے نشاان ا گے یا اک طح لے میں نسخالکتاب الى کناب گے ایک جیلیہ ہے کاب ورو ری طرف س 
کیا عا ی اطا 2 ا کے سک کس یتعھم شک یکا اصطاج دک نکی اط کی ووسر ےج کے زر خرو تب لکیاجائے اک 
موا کر کے ن کے اور ای ے ری حم جومقدم تھا اھ یا کے او مکو شور اوردو سر ےگ مکوت سک ہیں 
کی چا ریس میں لتاب ای کا ں کاب اللہ کے اھ حدی ٹکار میت کے مات © تاب الف کا صر یف 
: ا 0 ف ہاب اڈ کے ساتھ۔ ) ي 
ا سک کٹ یہ ےک مشلا یی کو یتم قران مس ال تھا کی ہاب ے اح راکیالین جر کسی خا مصلحم تک وج ے قرآا نکی _ 
` کی دو سیآ یت ےآ اہ س تع کو ملسو کر ری اب ا یکی یدو شی ہو کی٠‏ یاتوددآبت قرآئن مل ہا ہے اورعرفحلاو تک 
پاق ےکر کان مکامعدم قراردیاگیا۔ یا یک عم کے سا تق ھ ہی بھی مفسو کرو ییاو راک رم رکید ومر ی کل ےک میٹ 
ےک مکوح یٹ تی کے و رہ موکرو ایا ہو یری کل اک ہے س ہک ترآ ن ےگ م کرم ریف کے ور خضت 8 نے 
شوخ فر مایا و :لیکن اس یں کی مکایہ اشکال را یں وسک اکم اب یکو ر سول جو ایک انان ہوا ےگس ططر حعکالدم قراروے ا 
سے یہ اشقال وڑں ر :کیا ےحہاں ہے لاد گیا ےک حد ت یظاہ رتور سول انش کو کات پان سے کے ہوئے الفا کے جھوع ہکا نام 
ےلین تقیخشت میس مرف کی وی اکن الد سے رن مرف :تا ےک قرآئن ا کی وگ ے نک کارت نی کی جاک او ر ںیا شون ٰ 
برادراعت بارگاہ:لوبیت سے اترتا ےلکن الفاظا ر سول کے ہوتے ہیں اس صورت می یہ میق تارش نظ ےکی جس ے علوم 
ہوا ےک حصربیث:ق ران کے م کو ضروخ یں کبزا ا کاجواب کیہ وکاک مر ہت میس لف کا ی سے مرا رآ خضرت کا اوہ 
ار یار ے چو ورا ضر تک ذال رائے اور ا ہا کے رہ روارر ہو کہ وار شار جولطورویآپ پت کے تلب م الا قراب یاے 
ا تاو کے بعد یہ تفارش رن مو ھا کے تاور ل کی چا ےک کے ری کو ر مور ے اذا اس ے ای کلیے رک اٹریس 
ےکا ٤‏ 
یل کیک میٹ ےک یک مکوکتاب الل کے زریہ ور قراروے و یہو پان یہ بات با لت انا کی ٠‏ 
تاو ن ع تب گی ی ی مضو ی ووو چ سے ہوگی ہے او لقو ےک تلو بنا نے وقت إل انون ےکوی فروکزاشت ی موی کی 
وج ے اھر شای تالو ن شرلاو رض وی ورادا لے ا ا 
اہر ےگ ہکظام اٹہ یں یہ حال سے ای س ےکہ قداکی مم وزات کی کمک ی مول چک اوک زات سے کک زیر 
پاک و صاقف ے اس لئ جو مک تالو بنا ےکا یا تھی د ے کاو وباک یح وکا ہوک اس میں ی یک امان ی یں و ی 
رع رسول کے ججائے ہوئے امام میں مکی ہے جزل ہو کیل کے سام نج ن انل وٹ امور سے ہوتا ے وہ براو راست پا رگاہ 
الوبیت ے ازل وت یں اددددبازر الث سے ال تقار تین ین کت ے ۶ ود ٹیا اللہ کے شک کوٹ یک اد و 
چک تنس طرع رن کے ا کام ہک لک ربا سے اک رح مد ت کے اکا مکی ہو و یکر نا کی و ری اور لازم ے زام دیف کے 
r‏ سیر ا EDT‏ ہکا بد سس مسا 
ے کت کی رل کا ں لے از ن یبر لکیاجی ےک میک حالت بدل جات پک یرل پااچ | 
شل ایک قانون با یا کو اک ای وکت باخول ا م کے تالو ن کا منقاضی جوا وم کے ےن مرج اک ZT‏ 
: ار ٹا جب ادل یس تی یئ لوم کے وک وم ارح کو ورا رخ اختیارکر کے تو اب با قانو نکی مان بھی رلک اڑا 1 
ے کو اورا ول ی بلا آذر اصلا کی خا ر 1 سس سے لے قانون الور دا اور ! لہ 5 سے ةالو ت کو لاوکر دیانظاہرہے اا 


اور چان ہوگا ای س کی 2 1 7 ی فال س یں مر اوی تل و دای کےا 
ہوتے میڈ ان کول غ یی کیا چا سکم | 
2 رخ ان غتر زضى الل عنما َل لزل صلی لخب کر نے ہے را 
کشخ ارا أن ۰ 
”اور خضرت این گر راوگی چ کہ مرکا ر ر وھا م 1 رورپ ای شض موی کر اط ضرا کر یں جیار 
٠‏ (قرکان ہے حم کی قران شور ےر“ 

8 وَعَن أبن تَعْلَيَة الشَنْیٰ قَالَ: نزول اض ی الله خر لم رو لل رض قرا لاغز 
پیش ہی ق دؤا مَك عن ايء مس ہی َثْزْاعَلهُام زوؤی . 
الخاد یٹ الله الاو فظن 
”اور نضرت الل ی ادئی یں کہ رر دوعا 8 0ھ 

۱ 1 انلود پچھوڑدیا ان کے شر اد ارک نکوت رگ کرو یا رکا فا تی میس تما 0 شک وش اور رورو 3 کرو اور جنر 
وی اش تیال نے حر مکی ہیس( لی ا نکر اتا II‏ ابدیاے )ہوا ام ان کے روک امت جا اور نجرد ترک ہیں رش 

قصائس دخیرد اقم ان سے تاز کرو( تن ان س ای طرف ےکی زادگ کر اور ند چزوں کے ارہ شس یو لک ریس رک 
انت !ات کیا ایی ایی ہیں جن کے بر ںو ضا حت یں کک دو مم یں اعال راجب ہڈا ا چزاں 
یس 7 ۱ طرف سے اکٹ شن کرو۔ گور ال دہ ری دای نے رہ گند 


7 لپ کے یہت زیاوہ اخلاف نے رص جک جنر ےو و ری و پر اا شت 
ا بح سے “شور مر د شس بعد گید الاک بن روان ا کا اتقال ہواے۔ 


بع ورزر 


کتاب العلم . 
کور سی فضاتکیان ` 


'حے ہر سحتس A‏ 
ہے؛ اخطاق دعادات شن جلا ہی اکرتا ہے اور انسا نی کو انھائی باندلوں پ یہنا تا ےکک قب انا کو عفان با یکا مقر ری س8 
مو رر نے کن وگ کو خقیر ےکی مم را کاچ اورول وو اوغا تی وا طاع لزا ری کر ہشیر کے - ۱ ۱ 

رض و ارب دہ راد وت رر رت 
رار دیج ےا ورای کے تصمو لکو وی وولو ی تر ی وک ھا کا یہ بنا تا ہے ہے بات ز جن کی چا ےکن ا سلام رای ویک ) 
اد سے دکتا ے جوا ذا خقید وکل سے م زم ہو کے لی راتان حر ہیس موہ سس شی 
ای مل ومارک ہا رک رتاس جوڈن ران کی طرف موڑدے پا ضا نکوفداکےرسول سے باآشا کرد ہریت کے 
رات لگارے۔ ۱ 7۲ 

O E Ul‏ وو ون ری ریت 
کت رھ ری رر رور یش ت ت جوک دمرس طم ےا سا مک رٹ سب ہے تد وروک چ 
کاک للہا ران کے لئے رو ری قراردیاگیاہے چنا نچھ ي ارشار قول ˆ 


لب المأمفريضةعَلىكلشنلم- 

ٰ نعل ما وص لک رباہ لمان رش ے_“ 0" 
۳ سرت شی داتی ریئو سر تے 

بار انان اسان : ارت ا تک پا کرات امن حا لک یہو ا رای اکا سے کن 
ا ررر کار ایا لاع گار :سو لکافریال بروار اورر و رجت کاپابن ر شاچ - 
کم وین ج تاب وہ او زشحشت رسول اللہ تل ال کیل ل مار وا روخ (میاضر) 
ْ ملیف ا مک وع ہیں جس کے حصول کلاپ وسخ کی حرفت موقوف ہے نشی جب مک یی علم مسل کیا نے قران 
ورت کے علوم وموار کا عرفا ك عا ا بیس ہو سکیا شاا لش مرف وکو و غیرد کے علو م جب تک الکو حا لن ہکیاجائے اور ٰ 
e‏ بض تکام ی طور نی اسم اور ال کے ناتم رارم ee‏ 


مار ي _ ۱ ج. ۳ n EY‏ تلم اوا 
۱ ا ےجو تایا کال اور اغلا ے تلق ے۔لینی یو ۶ گ۶ صو پالزات اورث شہ ضرورکی بے اور ا یو 
ال لک کے دن شر تک پ توک کسی رعا رامت سا ت ےن ہے۔ ”ان س بکولم موللاتتھ کا اتا ے۔ ای طح ایک دم 
اش سے کو نت نف کک کر ےا ا نات کی کی رن ےو د دت 
٠‏ ئ رہ سوا الات سفات داھک رای وچاد تدم را بے 
یں جس الہ آحضرت فی اد علیہ وع کاارشادے۔ 
٣ )‏ 0110] ) 
پٹ عم یک لکر ہے دو تال ا کر یچوم فی بکرتاپے جونہ جانا جا ہے اور ھا جاتاے_ ٣‏ 
ا خلم لاہ یم با نکی جو اقام مہو ںوہ بی ,ہیں۔ یہ ایک دوسرے کے ے لازم وطزوم میں اور ان ووتو جس ند 


رواو رلو ست و خو مسبت ےر کی ضیلت شل جآکیںوارویں: موی تقول رومان" اقساممک مرا وزجات 
ام اشا 
سے یت 


اَل ارز 
EEO‏ 0 سز الله صلی اللا عليه سمل لی لاشوخد 
عٰ نیج ِسْرآبی ‏ ولا حر چۇم ن ذب عل معَجَذَفَليتَبزَاتْعْدَأب ارہ ری . 4 
رت ت یداش ہن مرو تی او علہ اوک خی پک سرکاردوعام ہے نے ارشا زایا میٹ طرف سے اکر چ ئی ی ای ہو 
اد تی سرائیل سے جو تھے سنولوکوں کے سان پیا نکروب گناہ ین ےار وس دا رک طف جو بات مسوبکرے سے 
اجک دیاسکا روزن جس ڈحونڈ ے_' '(بخاری) 


> ارح IE TTT NEG‏ 
ہے ہہوکی ہیں کے ایک ھوک ع ریت ےکلہ مت تجا یی جو خاو رباوہ جات پیا ای طرحع دور مخ مگ رجا 
اعادویشگویا ای سل ہکا مطلب سا ےم امہ وس مج دالفاظا کے بہت ھون اور ترپ وکر ب ںکو 
ووسرو کک ظرور ییاور ا لک اقاویت سے ووسرو کوروشنا ںکر21۔ علا نکھت ہیں جس ور کا ئل مقر کک یہلا کے اور . ۱ 
دورد لو ھی روق سے منو رک رن ےکی تیب ولا ٹا ےکمہجہاں کک ہو سک علم کے یلا سے ادرو نکی با کو انان میں واوش ِ" 
) کرٹ جاہجے۔ ہو سکتا ےک تم ضس یا تکودوسروں کک بیارے مواچ ووبہت نتر ےم رکیا تج ب نہ ای سے ا یکی و یکی سور 
جائے اورر کیا جن جا ارد راد ہدام گے ی کے ہے یل نہ صرف ےک ایک شک یرایت ہوگاددرادراست پگ 
) جا کی ا یکوچ سے ہیں کا چ لگا اور بے غا رجات سے پوائزے جاگ _' ٦‏ 
) 99 ووی ا کا 700 اگ تی امیر ایل سس ےکوی ق ستی“ گوو ے ا 
ا کر کے مو کر ان کے اکا و خی وکر ےکی اچاز ت نمی سے جیا از شت احاررٹ یکر چکاے۔ ای ےکک واقہ یا 
کو نس خی کے مو ریا نکر دنا شری :مور سکوئی اتان را یی ںکر جن رون کےا کا مک سک ایا انی ا رتاش ریت ړکک 
۰ اد اصولوں کے فلاف س کرک جب اس ونیائش شرعت ری یکاقاء اق اب تام دو ری شرت ضور او کالعد مقار 
آدے ول 1 7700 ریت مک یکو چو کر دو تی ریت کے اکا E‏ ت 00 کن آتر رٹ ر 


ا ملاج رن يي ۲۲۴ : ۱ جلاڈل. ) 
کرٹ لر فلا کشو یا ےی ایت ما لفطد شاو تر بلق ے۔ ۳ ۱ 
چا رابا یا ےک وس موی رف ی نا بتک اتا کا او روخ پان رھت ترا سے جا چک وکاک | 
ہس عل ل اہو جائے۔ ا سک ہرک جروا سب ے ڈے ماد د صروت “ل تان بن ھا دمک مز 
کے" ٹم کے شعلوں کے جوا ےکرویاجائے- .. 


انی ارہ یش جیا مک ستل کا لاق ے ملا تلقہ طوریر ےکک ہی ںک ہآ آحضرت کنا 2 کی ا ا 


کل کی نہ تک ناو تع مآ ب پان سے تات ت یس ےرام او کنا یذ اور ایا کاب انسان خمراکے مخت مزاب ارقا ۱ 
کیا چا کا دن علال مشا رام مج ےو بک تل تارق یل کیا کہ یش کک ارم ک6 ۱ 
۱ رات ہیں۔ 

جو وت RT‏ شر تی 
جات ےک وہ انا انار وز خلا کے کے پارے ا کہا جا ما ےک ے سے پان ادر او ےد رچ کی میٹ ے اور ا لکاشار 
نوا رات شش ہوتا سے بلہ دو سرک تنواتت یں اس کے مرت رک ور 00 یی ہیں۔ اس لے کی اک عدی ٹ وحابہ اگوی 
۱ جاع تقل کر ہے چنا نہ ضس مین نےےککھاہ کہ اس دی کو اھ سکاب نے روا ٹکیا ا ہے جن میں خرو ہش ی شال 

ایت 
رغ مىرۇن جلذپ ولْئییز ی ناقا ان رخزل فلو ی اعاب وسم فحت عن بحرن | 
یاه یتر اَخَدالْكَاذیٹن)۔(ر٥ہ‏ ۱ 

اور ترت مره بی جرب اور رو شال مار یںکہ ررم لا نے ارشاو قرا جن یری (طرف 
او سی سس ا کے خیال رک دہ ھول ےتودہ وٹ ےآومیوں شی سے ایک موم 


رج 


7 :ملب ےہ رر | یا سیب شتتی سرت 
سے اور پرا لکویہ محلو م کی م رک ں جو حدریث پیا نکر رہ اہو ںوہ عقت می لآ حضرت کی م یش ای ےکک کی ی ےت ٠‏ 
وو مض 020 مو 1 ر سٹ ت و کے ی سے چھونا ہے 1 می نے زات رال تک طرف نل اور 7 ا 
یتس بھی جر اس حدی ٹکوبیا ن ررم ے اش لئے مو اورکڑاب ےک وہاشاع تک کے اور یہ جا کرک یک ۔ ے علط رہ ے 
ا و از N‏ تر ر عو یٹ نا دالاخداکے تاپ م کر رہ٢‏ ای 
رب وس وا نگرنے وانے سے بھی آخرت ٹیس موا خی ذ ہکا جا گا اور اس کت سا زاوی جا گی۔ 

0 وَعَنْ مُغارية قان :قال زسزل الله صلی الله غَليهوَسَلم رن رد الله د ابه فی الین ناقاب 

) 00 

او ,حشرت ماو راوگ ہیں کہ صرکاردوعائھم پان نے ارشاوقرایا ت نٹ کے لے خد اتال ٹاک اراوکرتا ہے اسے وی اھ 

عطافراو تاچ او میں رک مک شی مرن والاہوں طا سے وال( اوخی را کیاتے۔' "جار یم 


| رای سعرہ این جنرب او ریت لو حر سے 0۸ج ۰ تم میس ال کا انال ہو ہے (اسیرالشخایم‎ ۱ ٠ 
رای و بن شع کھت اہ ہش صروت قل کےا کی ےم ال وید ایم‎ f 


مظا ر جرد سوک oR‏ لر اقل 


7ت اس رٹ سے ملم اورعا مکی فشیلت ۷ OEE ETT‏ 
کی رولت عناثت راتا ے اور اچ رسک یہ خداکی بہت ی مت ےک وو یف کووئی مور شی ام شرت او را رت 
وت یقت کیب عنایت فرار رے جوہداسیت ورا اور ترو جلا کی سب بے ڑک شابرادے۔- 
حدیث ک ود سرے جا کا مہب یہن ےک علمکا دا ای توالیکاذات ے میا کا متوصرف یہ ےکر وی مسا اور 
ر۱ لگوگ کا دول ادرعدیث جیا نکردون۔ا بآ خد امیا ےک وچک تا ا ان لکرن ےکا 
او رورو کرک صلاحیت ارت ف ہت ۱ 
2 َغن ان مُريْرَۃَقال و -- ب, + 4 4 لش تقون كفي لأب و ليطت جوازفم 
في الْجَاجِلِيْدِخِیازُهُوفی الالام اذا فقَهُزا)(۸؛ ۱ ۱ 
اور ضضرت الو ہرم و راوگ تک اروام چ زی 17د ںضطیہخپھذلکہآ ےو 
ایام جایت شی پٹ رت وہ زات اعلام گی تر اکرو کی حطر 
شرع ہے سس یپ پر لس ص یئ 
ثقایت می و یکی ےک جس فرع ایک کان مس ل وتوت پاج ےپ ںود وی کان میس سوناء یئ دی اور کان میس جوا 
سرب ریوک یی اہو سے میں اک اط ر اشا نکی ذات چک توا ے اخلاقی دغادات اورصفات دکالا تنا ت اور 
اشوکت ہوتے یں ان ےک در جک ہوتے اوت سے ای گم کے یں جوا صفات تھا ترو ےرت 
ب لے ال : 
حدیث کے ری مل ہک مطلب بے سے 1 و اتر نخسا رعارات کے مالک ے طز 
اوت و شیا عت اغلال ربز ارگاور مت مر تکی سو سس اج کان صفا تک بناء ۱ 
بات تر ل . 
یگ ای ےی ت ےک ہوا او اناج ب کک کان م سے ری کہ و خاک یل ے رچ کوچ سے ا ا مات شش 
| یس ہوتے جب یں کان ے ٹا ل لیا جا ہے او کی شزا لکرتیاباجاتاہے تونہ صرف ےک دو تی صلی صورت میس اا ے ہیس جم 
انہک آب وتاب مکی ضاف :وجات ے۔ ای طرح جب ت کو سکذرکی قبت میس مچصار:تاہےتوٹواوو کاک پاوقار ہز اور ال 
۲ کے اتر یىی ساوت ہو تی ی شیا ت ہو اسے بتر ی کل یں بول مرج بکف کے قرام دو ںکو یک کک رک ےقلم سے ارتا ے 
اور یمان و اسلا مکو تو لک کے م زم شی کال اص لک رتا ے اور پھر اس ےآ بکوریات ومیاہردا وروی حتت وقح کی بھٹیوں ۱ 
کے حوال ہکرد تا ےئ کے ودنہ صرف ہیک وہای اص جات شی جات ہے : لم ورک روک سے اس کالب دا مور 
او اا ے اوروہ مرک تابات ربیل ر اا ے۔ 
© رخ قر تقر ق مین ال صلی الع وسم خمد اڈفی اس ځ تاف 
على هلكه فى احق وزج لات الله الجكمَةَفهرَتقضى بَا وَيعلْمُهه) تمي ْ 
اور خضرت ابی سور راوگ کہ راو ام i‏ نے ارشاوفرایا۔ رو شون کےا رے م ص رکر فیک ہے اک یتو ووس 
E‏ وا اور یر سے رامآ یں تر کر نے 1 ایت رالد ر !دہ تھے خدنے 7 راچا کہ دہ ا علم کے ٠‏ 
E ۱‏ "ر 


۱ ملا ہ رن 9 ۱ ) ۲۹ لاو جال 
۱ رق : تع ات کت ہی کہ ریہظ اج کر زس کیا ےک وت یرتا ںآ ار لک" 
پال ےم ہوجائے۔ "لاہ رج کے ایک بہت زی خصلت اورا ئا وات نس کی بات ہے۔ اسلام جو اغلاق اکا سب سے ڑا ۱ 

مبردارہے اس خی اتی وو رڈیل فصل کو پٹ دی ںکرتا ا ای سے ٹپ ام داچ مد ےتال میں تیل ہے تہ اے ٠‏ 

کھت ہیں کسی کے اس۶ لوٹی اھت رک ےکر یآ رٹ وکی جات کہ کی لھ اس کے پا کے قرا ا امت ے کے بھی فرافر 2 

ریت ا کو او تر رق گی کیاکی او انی ظا ادات بر فال ال کال ممیت 

۱ چنا یہ اک مر یٹ مس نس صر کے ار ےٹیل قراب کیا سے وہ قرط ے۔ ۱ ۱ 
© زعن اين هريره قان قال زول اللہ جلى علي وإ ات لمان لقع تا ن0ل 77 
اشیاء مدقو جاريةاۇ على ٹن لف به الصاح يدغۆلة- رد 2 

”اور تضرت ال ہر٥‏ راو یک رار وویم کو نے ار شادفرایا 0 ہہ" 7 
پر جااے ھن چو کے ٹوب اس راسج مرت اریہ © ی ےن حا کیا ان © ما دارج 7 
کے کان کے نت چٹ وج 
مر ہیں فسوی شر ا 

ےا ج انا نکی زر می اد ہوتے ج کر ان 6 اواب ای طور یال ہا جک وہ ز رہ آرت جو جات میں اور ر کے ۱ 

بحر ال تا ےکر ا کا سلسلہ مرنے کے بح ر آرم رئینیس رہتا کک کی یل جب کی اعان ہوتے تاس کاتواب ۔ 

۱ مار تا اجب زنرک ا موی تو اکال کی م ہوک اور جب یہ ام لم یوک نو وس م جرا مز اکر کی م مرکا : ۱ 

r er )‏ ا ب لاسام لر صرف کہ زندگ شی بلا ے با مرنے کے بھد بای ارک رہتاہے ۔ ا ےی ۱ 
اکال کے بارے م١س‏ صر یٹ میل؛رشمادف مایا ارہس ےک ہ من اال ا می کہ زنر تم ہوجانے کے بور؟ گان کے وا امد 

) بر ابر چار ی رمآ ے اور ہے والابر ابر ی ست ہوتارہتماے۔ ۱ 

nae A E ری‎ E 

اروگ رگیدو مع را ےت کی رزگی ےرچ ا کی ا رک ورزر کی سے فار ا ھا لئے یں اکور ار 

لواب ہار ےگا ٰ ْ . 
) دوضری جزم نافع سے نین کسی ہہ وخ یں لوگ ںاو ان علم سے فائدہ ار اودارا سے عم ۱ 
ومجار یکو و یناب زرد فو اک کیا چ ویش لورآوں کے لے ڈائر مر اوش ورای کا ہپ ےا اسیو ین شی کو اروب ۱ 
گی اچوا کے )کی وار ث نے جس سے لوک فائمہاٹھاسک ہج آرے سب چڑیں اک ہیں زنک ہوئے کے بود لے ) 

۱ ۰۶۸ھ ش نک اواب ا سے وہاں ار ےگا 

ا ےک اق کے سے e‏ ھا اس 
کہ صا ولاو مرف ےک ما پاپ کے لے دنا مکون د راص تک باعث کی اک ان سے مرنے کےا ال کے ے وسیلہ 
جات اور ڈراچہ فلاع کی ہم ہے اور وواک طرح ےک لوان ونیک ڑکا ا نے وال رک قبرو پر جانا ے وہال قاتحہ ڑھ تا سے دعا کے 
خر کا سے اق ران ھکر ا نک وہ ہے اور نکی مرف سے خیرات دصقا تک رتاس اور اہر ےکہ ہے سب زی مرو کے لے 

ارا ب کا پاعث یں جن سے دہانروکی کی ش کامیا ب ہوا ۔ ۱ 

ا وَعَنهقال فان رَسْزنْ لو لی ال لو لم نش غَنْمُومِن گربةمِنْ وت انانف الا ئدکرند _ 


اتو ا ۳ ۳ جلد ال 


ن گرب ۇم اة نيشر على شر ت شر ال عليه قى انيا و الاجرة ومن شر شنى امىر اللقى ال 
رالا جرةواللَة فن عون ادما گان اعد فى عن َو من سَلَكَّ ربا لمش فيه عِلما سَھلْ للل به طريقا 
إلى اهوم احْْمَة فى تبت تمن يوت اللَهيلوِ کنب الله ويا شوه بهم رلا ترلث عليه المَکِیتدُؤ 
بیع زهكرهم لله فمن مننازنن تابه عملا ميرغ پەتىة ر۳ 
“اور کر الو ہریرہ زاوی ٹک سرکار دد عام کن نے ارشاوقرایا۔ جخ نکی طتوں شس ےکی مسطمان یکو ی اوی دور 
کرےتوولہ امت کے دن دہ کا ںای کار کے کاو رڈ سے می کاک مدوم کک تال دخ اوراخرت 
٣‏ 77 یکر ےکا اور نل تال ا وقت نگ رو نکی مد دکزتاے جب تک ووا سے ای سلا نکی ید وکا رت سے اور جو 
ہے یہ شی کی رات پر چا تو ال تا لس "ہف کے را تہکوآسان کرد ہے اوج کول جماعت خداک ےگھ سر ا ٣‏ 
702-0 ای ےل اتا دای ھاب سے تسین ناز ل ہوک س رت غداوندک ا کو اٹ الد پا چ اور ۱ 
شر اک یکو گی لیت ہیں :نیزالل تداق اس جماعتکا زراك ار شتوں )شیرتا چ جوا میا کےا تسار ہیں او رج نے مہ ری 
آرت یل ا نکاس کا ن ور فی کی ۱ 
21ھ یسید ے ام ا طرق یاک ظح رکا ہہت ے:مزم قد کیپ ذ ذڈ کے 
درسات کت رعحروت: الال وروگ ورواداری ابر ار واو شت اور ن ن سلو کی کرو راگن پاتا ےج ایر مان اغلا 
0 کی ورات ےا عن برت ار 0 
چاچ امار نک ار قیاعت کے د نکی سے اا ےو ےا سی اک رر یکر ود ای م شابوا سے 
اکر ای ےکوی خت وقت ]ٹا ےآ ا وشن میس پش اموا ے تو ا سے چ ارلا گر سید 
گی فش نلاہے توا نکو ال سے دو رکرو ال سک صن سلو ککایی وو رامت ہے ٹس ی لک رم ”شر تک تول سے ایت 
آ ا کے ہا زر ھا کے 
.اعا نک مارا ےکنراگ تم دن ووت دونو مکی اتال پا ےہر تم ا ی مک نکی کا امرون تہار ےترم ١‏ 
جو ے او رآخثر تک یملاع وسعارت تھہمارے تہ شآ تو اپنے اس عا کر وکر وجوش ر ست ے۔ کی ووی کے پال شش ٠‏ 
پنساہزاے؛ بے رو گار وہ عا یک کی میں ٹیس رما ےل گر و مرش سے اور خدانے کی وستمتت وی سے تو اکاک ارا 
کرد ۔ اگ رکو خو و تار ه تر بش چ اورم جا ے موک وہ رن اداکرنے قاد راان ے توما یکا محا کر رو راوتا خی 
مال د پرا ےتو ا لکی روک کے شی سے اسے چھظاراداؤ۔ اگ رکون ا ناداری نخس یکا نا بای مخت کرو ر کرو را 
' رکا نم ا کی اس ضرور کول راکردو او پچ چو تاک رم تی طرع بڈ مک ہیں ا سے راس شس چاق سے۔ ونیاکی عرت 
وت تہارے تر موں می کیان نظ راک ےک اورزندک کی بر ا تہارے لے اہی اور مرف وتاش جک آرت ھی بھی فر 
گیارححتہتممارے اھ موی وبا سک ہ رش اور ی رآز مان ہی تمہمارای ن ساوک یرگ معاون ہوگا او حم وہاں کے راتان میس 
کامیاب رجو کے ای رح قراب ایا ہک اک رغم رتا دآ قرت مل ات یو بک پردہلوقیا چا م وتوم ناش اپے بای کی بردہ گی ۱ 
ei‏ ای کے کیب کولوگوں کے سان با کر کے 1ے روا اویل وت 7 ریا ےکا کا نے سے اکن 
کے سیا سے اہک کے او ری رس رام ا چیا لک اس شرمندہن کر وک کہ سی خاک معللہ ہے وکر چا چگ لوا ے رای میا آخرت جس 
۱ زارے و سے ا ورتا امت سے اسے حاف یکر ےکا۔ 
وی رکو انا ارک اکا امت ہد تہ ےڈ ا 


اف 


مو ن . 0-7 ) مق ۱ ْ لاقل 


مترو کی یں چ ایک اسیک دار چا کح سے اسک ج ام ایک حر کر ےک ادنا 
اورقیاصت شا کے عیدب او رگناو لک دہ لی را ےگا او رآ رمیس وی طور کے جا یا ےک جب می فکوئی ند ہا سے 
سی بجا کیرش ارتا اورخدک کدوک یش مصروفرہ تاقوا کے ساتھ اھ خان ددونصرت رک چ" 

مد یٹ میں طلب علم اور طالب مکی قات ت گی ظا رنراک ارک سے چاچ ور شاد مورا ےک چوس گم وین کے حضو کے 
سے اس ووش کو چھوڑکر زز وا قارب سے جداوکر اور وآ رام ر لات ارک ر حصو ل مم کے جذیہ سے ارک ے او رورش علم 
وو رت را ساقرت خرن وتا ےآدقداوند اق ول ا کی رات و مقت اورجا نکی وران لوج سے اس ء بش تک راہ 
٣۳‏ سر ٹون کے صل رض اس جتنت می داش کیا سا کیا کہ اسے دا ون کیجات سے ای نیم ٰ 
5 ۷ سك سن عم مکی اش ای سمیتوں اور پریٹانچ کو برداش تکیا 91 رود یک .0 ھکر ے رجت 

سور و ہو کاسجب اور باعث ے۔ ٠‏ 
) بے یو تستتف سس شپت یتین 
ُ کو ڑھمانے میس مشفول پہوتے ہیں ان ر فد کیا جاشب سے بے پایال رمت کے دروا ڑ ےکھول ر سے جاتے ہیں اور ات فد اک جانب 
ےکی کانزرول ہوتا ے نیقی طا کم کے ساس مس ال کے اتر راط رق ادردل ہیوت ڈرال جاک ے کیو جہ ے ال کے 
اس اس و کرٹ راح ت وآ رام او ر یرای کے فو ف وڑر سے پا ات وصا ف مور جروت یر کی طرف لوان ئے رت ہر پور 

ا کا نیہ ہے ہوتا ےکی ان کے ول فور ابی کی ہدس ری سے کا اھ ہیں زف ر ؛ نکی عت وت وت کے ںاور فر عقر تہ 

. سے ائن لوگ ںکوکیرے رتے ہیں دو رھ رفاوتو نر دک ان دی ماع تک کرو چو رن ور میں مشفول بوق چ اپے ان ٣‏ 
زشتوں کے درمیا نکرتا ہے جو کے پا مو ے ہیں ہا جماع تی ہا عطمت وف تک ول ے۔ ۲ 
۱ خر مد یٹ میس طرف اشاروفرا نایا ےک ہآخر تک یکا مال وکا مرا او را نؤاد تکاداردمدارٹمل پرے.۔ کردا کل 
. خی سکوناتی نی سن تو ترت مس عقت و لمت کا ہار ہوگا اور دای کی نل ےگصل میس )وتات کی اک رجہ وہ دنا لکتمای بااقبال و 
٤‏ ) تکیوںص ادا رکا اب وب ایوا نہ تی ای سے رہ ہگ ادہ کاردا تچ 
کا م یس و ےکی a‏ 
) یا شی گی کن فی تو پال . تسنست سے 
۱ ا با ہس یس سو ہیں مس ہہ 
` © وله قان قاسۇ ن اللەضلى اللَدُعَل وسلم دان ون الاس إفطى عَليه بوم القيامة ر جل أشششهد قات بب 
عرق غم رھ فقا عملت قبه؟ قان قات فيك حى أمنفهذت فان كت لكك فلت لان قال 

جر فَقَذ قل ل مر ہہ شج غلی وجه حى قى فی الار رول تلم العم وعلمه وقَرا لفان تى ب 

۰ قر مه فعَرَفها قان فما عَبلٰتَ فيها قال تعَلمْبُ الم وَعَلمْنه رَقَرَأبُ فيك القزان قال كَذَبْتَ وَلْكِدك ) 
لمت لملم لقان نع الیم قرأت الزن یفن ِنّكَ قَاری فْقَدفِیل نم ارہ فشحتِ على وجه حى ای 
فی ا رِرزجْل وع ال َيه وَاعظۂ هن اطتاف الال لہ فا رہ ريغم قرفا قا قُعاعَلت فبهاقال ٣‏ 

مركت مِن سيل تجب ان؛ می شر ٹر شش رو میس ۳ 
7 ص0 ,9 ۰ 
اور خضرت ار ررد و ذا وی چ ں کے مکار ددعام نے نے ار شا رنہ امت کے دن اگ جس پر خلو نی کو کر دی 


1 ا میٹ‎ e 
تم کیا جا ےتوھ (ونیا میس ) ش یکر یا تھا۔ چاچ میران رش ادہش کیا جات گا اور اللہ تیال ا کو انی زدی مرل‎ 
میس ادد لاس اجو اسے یا دای کی پھر اٹ تیال ای سے خر ےٹاک کو نے ان ھتوں کے کم می سکیا ا کا مکیا؟جقی اللہ اسے اک‎ 
یں تاکر الزاافریا ےا ہتونے ان خفتوں کے شک ران می سکیا اکال کے ؟ وک ےکا تر دا ء یس لا ہا ت فکہ شہیرکرد گیا‎ 
ای نتر لی را کے کا لو عو ے ہو تو وس کے مر خقما کے ار جا چنا کا میا او رت ا ال مقر لوق ے‎ 
اا اب ےھ سے کیا پاتا بم اج ےگا کہا ےنور کے لکی جا ان تن فک اسے ہک میس ڈال دیاجا تن گا ر‎ 
827 زو وسا ےی نف سکیا رو روا لو لیم دی اور قرآ نکو ٹا ان اہے کی قرا کے حصو ر کل )لاجا ئ گا‎ 

ا ںکوز دق عطا پو ) یں یاددلا سے گن اے پاد پا یبرغ اپ یہ تو کے ان نمتوں کے شک ری ٹکیا رکال کے ؟ رہ س 
یں نے لم یک یکی اور ووسرو ںکوسکھایا او رتیرے کی لے قران ھا اش تخا فر ک ےکا ترجھ و ٹا ے تو تخل ھن ہس لئے حاص لکیا 

تھا کہ کے ا مکہاجائے اد قرآن اس لے ڑھا تھا سا کے اوک قاری ہیں چا عا وتار ایا بواجا کے٤‏ اگہاے ۰ 

تہ کے ہ ل سینا جا ۓے یال تک کم ہے ہگ میس ڈال راجا تک ےگا ۔ پچ نبرا دنس ہکات ای سکو اٹ ےش می )و سحت ری اور 

بک رکا ال عطاف بای اک وجھی را کے حضو ر اویا جا ےگا اللہ وی ا کوان عطائی ہوئی تل رولا کے اجو اسے یا ہآ می ںگی۔ 
اللہ تھا اک سے قرا ےک لے ان نھتوں کے کر نکیا اکال کے وہ کے کاش کول سی راہ فی چھوڑیی جس شورع 
گر پی کر مر او رت فو شفددئی کے کے شس نے ای ین ری کیا ال تھائی فریا اتوھ ٹا ہے ؛کونے فزخ ای ےکی اکلہ 

ر ا جاور جا ایا پچ عم دی جا ےک اکہاسے نک کس ییاجائے یبال کک اے ٹک میس ڈول راما ےک 
کا 
ےھ ال ٹس خی تار رجہ ے؟ سو جیپ سمل فدہ فیمستان 

ٹکرے بک سے کیت کراس تا کر ا کی تی وا کا دیس کام نی ںآ ےکی ف ووت ل پنرے' 

ننس می شاب کی خو شود اور ا رتاک یت ہو اورجز یہ اطا کت و ے لور ہو ورٹ ہو کی ل لخر الا ي اور رلت 

ےا ہیک ای م ضف رکا ایت تن نر ےت ورای کل متیر ت مرتب یس اہ الا ۱ 

راپ وئر لگ رکا ا کاچ کہ ری سے محارم ہوا ۱ 


© وع عبدالله بن عفروقان کان زشزل للّٰ صلی الل لیو وسم رر للل بف لم فيرط ہرعن 
العبادولكن يقي للم بقع لاء حم اذا لم بق عام دالا ز٤س‏ جُھَلا قشبلؤا قاقنزابغير عم 
فضْلراوا لوعي ٠‏ 
: ”اور حشرت عبو اٹہ اہن گر ایج کہ سرکاردو الم لٹا نے ار شاو یں الا علرو(اخری زان مہ 2-3 
کہ ٹوگوں کے ول ودماغ) سے اے کال نے با مکو اس رع اا کے کاک علمکو(اس دنا ے) اھ ت ےگا یہاں کی کہ چب کون 
عم ماگی نیل ر ےکا دو سو جس رسرو ارت ازس سا ا۶ 
جہوں کے او لوگو کیاوک ری گے۔' "خا ۱ 
(1) وَعَنْ شقِبق قال :دلە بى د تشغۇوي ازڭاس فى گل وبس فان لجل اتا عدیالزخيالَیذْٹ 
ك ارت نی کی یرہ کناٹ هغين ین ذلك قن را الکو ران وک تاگان زشزن 
اللصلی ا سو سو نس 


- 5 


مظاہ رس بر 7 ۱ کت لال 
”اور ضرت شن راوگ سک تضرت یرال ین عور ہرعرات کے روز وگول کے سان وع نیت کیا کے تھے (اک رون ۔ 
اک تس سے کیاد اے الد کی دا رن ! ری خاک س ےک آپ جار ے درمبان رو ڑا وع وک بک یاک ری عبر اللہ جن 
عو و نے فیا اک یٹ ایا مخ تی سک رح کہا ےت لوگ تک جو جاگ یش تحت کے معاللہ م تہاری کی امس کر 
ضا اک مار نیعت کے معالہ ہلآ آحضرت پل مارک کیک کار سے ادر مار ے الما جا نے کاخیال رھت جھ_٭. 
۱ (جفاری لم 
Ce‏ :اک حدیٹ سے نے ات وا سک دمت وکت اون کے محال اترا ےکم لن چان بردتت اور موقد ر 
وعنا وی ای ںک رل ای ای ےک ای سے لوگوں کے رل اپات نو جات ہیں ازروہ الاجا ے ہیں e‏ 
اتدل تی حون خاطرے میں نے اس لئ ون ےکوی اا بھی مرف یس وتا اک رح اس معام یس ڈاشٹ ڈیٹ: 
نار اوزیدمزائی وبد اغلاق سکرنا جا کیرک ای سے کا طب کے زین پ برا ے بن کا 
مار تو لکرےاورڑیا انت اتا ے۔ 
| وکت اھ رقت اد ایت اغا تات او ال کچ رشقت ےک پل چ املد تانب رل ی ا 
نراو ہے اور کا رین ر رب ہہواے۔ 
002 غن انس فار کان ای صلی للخ وسم د کذم َة اذھ 5ئ نی تنه خلا ای غلی _ 
قوم سام عَلَيهِمْ سم عَلَيهعْلَانا۔رررہاقارل : 
اور حضرت امس" راوی ہی ںکہآنحضرت لت جس بکوٹی پات کے تو ا کون مر خیانے پال کک لوگ ے اط ےھ پت 
اور جت اب پ کسی جماعت کےا آتے او رلا م کرک ادف یا کون مت سلا مکگرتے۔ ارگ 
نر :ا کا مطلب نہیں ےک بب پا ہرگ کے موق پر ابیاشنل اقتیار ریاتے ہوں کے اہ مطلب یہ ےکہ جب 
آپ پل کول بہت ا بات قرا سے ہوں کے ای خان مل ہکی وضاحت مقصودہوٹی موی کول تیعم بی نکرناووتا دک ار 
راہ وک ا بت یلو طائ با کراب خیا لک تام رک لوکوں نے ا ای رای ہوک تپ لا جل سرت اما ۱ 
شرا سے اور ال با تکوبا ہا رت کہ لوک وب نیل اور ھی رر یں ۔ 


اییے ت رجہ سلام اک ر کر کے نے ا ایک سلا حم واپ پا وو چو 08090 ٠‏ 


طلب ہے :رو سراسلا م کہ تےکر نے تھے(یہ سلا لاقالت کے وق کی ہا ج) اور تیا ملام رخصت کے وق تکرتے ے_ 
) © رن اپ هزد نضا ری قال جَاءَ رل إلى اہی صلی الله عليه لقان هبد عبن فَاخملیى فقا 
ھا لدی فقا رَجُ لن رَسْزن اللوآن دل على یلقن مزن الله صلی للأ عملم رقن دل على 
۱ غَیرفْلهمِغل! یی پھ. 
اور حشرت الو وو الصارگ ر مو الي س وت 4 و رہ او مرک لے ۱ 
ولیہ آپ نت کے سوارٹی کنات فرباد چا نحضرت 2 نر پا ر ہے اک ہیی دے دوں )ایک 
مل ا لم ام او ہکنیت الوا ے۔ آپ مال ہیں ار کے نیا جس وتات ہو کش کے ہی کہ 99ھ میس دفات تی ہے۔ ‏ ۶ 


جآ کا کرای عقیہ این کرو ے کے کی کیت ال وحور انصاری سے مشہور ہیں حضرت کے کے تر ماج سس بعمیت 
کہا کات ۳۱< ۴۷ھ یمر ہے۔ روا تال ہی ‫ 


جو ا mM.‏ ا E‏ لر ازل 
: ری شس مس مہ بے TE‏ 
۱ طرف ر اوغا یکر ےت ے کیا تھی لواب ےگا تتائنہ اس بعلا بک کر نے دا ےکی ۴ 
0 زغن جر قال کنا فی در اهار عند رمل الله صلی الله عليه وسَلم فَجَاءَ قوم عراة مجتابی امار 
آوالعبآء مُتقَلَِی الشیزفِ عَامْنَهُم بن ريل لهم مْمُطّر فََمَکروَجْۂرَسُؤل الله صلی اللَهُعَلَيْهِوَسَلَم لِم 
رای بهم من الْفَاقَةِفَدَخَلَ ڈ م وح قاقر بلالا فان اقام قصلي فم خظب فال ابه الاش اتفؤا ربكم ال ۱ 
قهن نفس وَاجَدَقَ إلى أجرالاية ران اللة گان عَليْكُم زقیتا- والابة الى فی اشر إنفو؛ اللةولتنظزتفش 
مَاقَدَمَت لق تَصدَق رَجُل من دیتار من زمه مِن نوہ مِنْ عاج پڙه من صا ترو حَتی قال وَلؤنشق تهر 
قان فُجَاء جل من الأصارِيِسٰرو کاٹ غه فرعنال ق عَجَرَّتْ لم تاع الاش حٌى رايت کُؤمیبِ من 
عام وتاب حَتَی رايت وَجْەَرَسُزل ي الو لی الله عله مھ ل كادهبة قال ۇل الوصلى اللُعَلیِ 
وَسَلمَة مَس فی الاسْلامِسنَا- خستَةفله جوم ؤآجز هَنْ عمل پهامِنبَعْدِ يو من غي رانْبلفض يِنْأجۇرهم شى : 
sS‏ يرقا ۇ رمعم پھانتغد منغ رنيلقض من را ِممشی ٤‏ 
ژرواہ ٠۲ا‏ 
”اور رس تم شىریش کو پچ کف رمت ین حاضرتےک ایق مآپ پان کی 
رمت م آل جو گے پر تی اور عبان لی ہو ےی اذ کے می وار کی ہو یں ۔ ان یل ے الاک سب :کے سب قزیہ 
۱ م رکے لوک ے۔ ان فا ہکا اٹ 221 اا چنا ارہ ہتفہ وکیا آپ ê‏ زان کے کیا ن ےکی ل یاس کرس تقریف 
ا ا قودالن تقرف لا اور حضررت با ل کر(ازا ن کے کا دبا حضرت بل نے آذان )یاد یر ۱ 
کی دک ارک از کد رآنحضرت پک نے خطبہ دیااوریہ آنت پگ ا بها الاس الَقَزارَبَكُمْالْبِْ‌خَلفكُممن 
تفس وَاحذف الایة تچ ! ”ہے لوو ! اتے پروروگار سے ڈرو نے سکیس ایک مجان(آوم ال ) سے بد اکیاے۔ “لو یی 
۱ اعت نس کا آخ کیا حضہ یہ ے۔ ”لن الف ال تہاراگہیان ے۔ "ادر بر آی تآپ غ ےک چ وسور حر ے ۔ 
رفش مَاقَدَمَث لغُدالاية تر جم ! اس اکان وااز و کات ا سال ت 
واسلے اس ےا زت جھاے۔ "رای ا سے رای ”را کر ےآ وکا ہے وتا رل ہے ؛ اور یل سے ۰اس ےک رے 
یی سے۱ اتے یہو کے نے رے یں تن کہ آب چٹ نے فرایا۔ خر 7 گر ور اکا کول ت چو راو ی کت ۱ 
ہی کہ ایک افص ری ت دیناریاد رکم سے کرک نو ا کپ لایس کے وزان سے اکا تھے کے کے قریب تناک جو ککیاتا۔ پھر 
2 لویکوں نے بے ور بے یزوکلا شرو کر دیا بپاں کک بیس نے و دو لے ٹل او رکپپڑے کے( شع شدداد کے پھر یں نے وکاک 
: ضرت 7 ا دا نکی رع جک را ھا سچ رآحضرت ڑا نے را با جس اسلا م س ی نیک رید 
رت ات کا کی لواب لگا اور اکا وا ب ی چو انس کے بعر ای برک لکر ےلیک نم لکر ےو e AE‏ 
کو کی نیس ہوٹی او ریش اسل م یش کی طخ ا تا یی اور کی کسی بھی جو اس کے جو 
اس ڑ۲ لکمر ےکا لی یحم لکمرنے دانے سک آنا سک وٹ نکی مول سس 


e GE :قرت ا‎ 22 


ل آپ کا ٦‏ اراق 7ے بن جرا سے او رکنیت الد گرو یا الو رااش سے قیلہ بی ے نعل کت ںآ پآ فرت لی می لی ولات سے مرف 
جس و عو عم سیت ہو ٰ 


مطاہرٹق ايار بار ۱ ۱ ٣۵‏ ْ ) جل ازل 


کارا ےر لٹا رآ 
یات اید ادوا نت ریب زلائی- 

سب سس o aa‏ چک آرم یش شرت تار 
ج العا ہے۔ بہرہال دوفو مالک میں ہیں اوروولوں ےی ایی ی٦ r‏ ۱ 0 

© وغن ان شزو قان فان رول الله صلی الله عليو سم تقل فش طلخا بل گان على انر اد الاؤل 
كفل من دَمهَا تر اذل مت علب ہی سے سس نے زاب هذ 
٣‏ الم نْٴشَاءَاللَهتعالٰی۔ ۱ 

۱ ”اور رت این عورش اللہ عن راوگ 7 7 نے ارشادفرایا۔ جن گے کر رت کیا چا تو جے 
تو ن کا ایک حط آم کے لے ے قائیل پہ ہو ےا کہ وہ ہہ لس سے جس ن ےق لکاط ریت کال (جناری امار وہ 
حررث شک اہتراءے ے ”لایز ال ‌امتی“ انشاء الہ ”باب ٹو اب هذالاأمة" یل بیا نکر گے ' ٌ 


تر :نان مر کار حر تدم علیہ السلام کے ی تاکز ری سے شرو ہو سے نس نے اتی اک اا مون 
شال خوا یلیل کے لے اپنے تی با ای لکوموت کات واا اور اترک سب سے پپلاشول دا ال 
ےا فون سان ےک نادۋا 
سا اک لیا کا اکا ےک ج بک یک رھ راتا قر ے اس ٹیک ۲ا اواب 0 
رار هوا لےکوشود ای ال کا اور ای عرقہ مرف لکرنے وا ےکا ی کے ۳ 

.اکا ا مرا یاجاد با ےکم جب بھیکوئ تسم کے طروت لکردیاجاتاہےتو 7 ا ایی دوت اتال کے 
ایس ےکنا ارات ار نم e‏ کا اول مورد کج 


سر اسر 


الفضا ل الثاني 


©) عن ربن فیس قال :گنت جَالِشامَغ بی ذافن تجد هِمَشُقَفَجَاءَرجُلُفقَا لا ب الدَرْةَاءالی ٣‏ 
جنك من دة سول صلی الله ع لیو وَسَلمِحَدِیْبْ ثبلي الْدْتُعَذَِاُعَنْ زسُؤلِ اللوضلى الَعليه وسم 
ما جِتّسُ لِحَاجَةِ قاز ل قان سمخ بٔ زشزل الله صلی الله عليه وسم قزل من سَلَكَ ظرِلِق لب ية عِلْجَاسَلك 
الله به طرق بن زق الجن وان لايك صغ اَجِْحَتَھا ِضی طالب الم وان العام لَسعَفْفِرلَه مَنْ فی ْ 
السات وَمَن فی الأزض و اجان فن جَزفِ الما وان فطل لالم على العاہدِ كَفضل القَمَر ية در على 
ار كراب وان العلمَاءَوَرلَه لہا ءِو ا ايالم يوزرا دازا ۇلا رهما الما ؤرلوا العِلمَفَمَنْ أَعَذهاَخَد 
بخ زار روَاهاَحْمَدُوَاليِزماِیوَأَبودَاؤدوَابی ماجَةۇالذارمِیوسَمَاهاَرم زی قيس بن گیر- 
”حطر کیراب ن تی کے چ کہ میس ایک میاق ) صرت الود روا کے س دش( شا مک سرش ٹٹھا ہوا کہ ان کے پا ای یں 
٠ح‏ آالا دک باک س سرکارد ونام یڑ کے شر ےکپ کے پا لا اک ھر ہت ہے لے آیاہوں نس کے آرے میس کے علوم ووا ےکلہ سے ْ 
7ت مس اروام کی ے لکرتے ہیں۔ آپ کے پاک میرےآن ےکی ای کے علادہ او رکوئی و نیس ےی کک ضرت 
ااودروا نے ریاد ٹیل سے آنحضرت پل کو را سے ہوئے یہن کہ جوش کی رام تکوزخوا و ولباہو یشاعم ون اص لکر نے کے 
لے انتا رکا ےتو اللہ تال ی ا وشت کے راس چا ہے ادرف ر طالب مل مکی ر ضا مندگی کے ےا پر و کو بچھاتے ٣ي‏ اور 


0ھ ھ" ا aD‏ اتل 
ْ ي کے 831 جج رم نوں نے !ند ے۱“ ری سس سر یی 2 )اور ٹچھذیاں ج ای کےاندر ہس دتا 
۱ مخف تک گی ہیں اور عا نما مکو ای ی فلت سے کک کہ چودہویکانات ام ستاروں پیات رکھاسے اور عام انم کےوارث 
" ںیہ ورات شی ینارد میں وڈ یں اناورک عم ے پناس نے علم س کیا ای سے کا صت پیا اح“ ری 
> دادر ایت نار گا او رگا ےر دنن ریا ایک ےی وچ کہ ماب کرد ےل : 
و نہ ۱ 
شش 0090-0 جا ےک اس ئن ےآتے بی سب سے پل 
کہا اک ہآپ کے پا نے سے می لکوئی ویو فصت اق ملاقا بیس ے ہم توم رین کے حصو ل کا شی ایی 
خوش پزہ لے ریا وو اور ری ای کہ پ کان سے سرردوتالم ک قد دیک کک ر اپنےقلب ددا ارم 
ویک ایگ روک سے منورکروں۔ ۱ 
تا ےک طالب ذکورنے جس ریت کے ےک طا یکی دہ مت ٹھوننے اھا فو ی ہپ انگ نوا یی 
کہ ا کوت یی ور بی سن ٹیل با ےکہ وہ حدریث انھوں تفیل کے اتر ی ددسرے سے کن رگا ہوگر ال یب کے اھ 
ضرت الود ردا کت رمت شل حا ہو کہ ی ٹکوبلاواسطہ مال نے رت ۱ 
EE O E NO OOOH‏ 
اال کہ میت ج یا ہاں کی سے وطالب کا مطلوب د برا چوک طالب خہایت مشقت وپ یل برداش کر ے اور 
دورورائکا غر ےک کے طل ب عم اور تصول عدی شک خاطرآیا اہ ان لے ا سک سعادت و یں ہی کے اظ کے طور یہ اس تا 
اواب پیا کیا او ا کی ملوبۂ صر یٹ انعول سے ال نکیا دہ چکگہ “٦‏ و2 کاب یس یری لے معن اتاب نے اے 
اق لیا 
E‏ 0 کی وط را ےگ یعس 
کے کھاتے ہیں۔ ا کی نز ی کہا ماتا ےکی وای داب عم کے شرف دع کی خاطرف رخ اپنے ہہ چا ہیں 
راپ 2 کرت اور ! سی رف رت خداون دک کے نزولل کے لے یکناے ے۔ 
فر امیا ےک انوںاورزش ن خد اک ؟ تی بھی ہے۔ سا Ea A‏ 
مر کک ای کے اندر وای مچھلیاں کی ای کے لے امسق رکف ہیں اہ ےک زی نکی کاو میس ہیں کی خا ی ہیں ٠‏ 
۱ کو ایر لک و رکرن ےکی شرورت تس کر ان شیک ےسک کی سے درل حا کی اجکی فضیات دعظرت ۴ ہار" ضور _ 
ہے وم کی طرف اشارہ ے Sc‏ 1 بر سلاجو رٹ ف راون ری کی نتا اور متا ایی لات ہے اور وئاکاک سمائیاں ورا یں تو انا 
7 ےت صلی ہوں یس اور ام و ہوا بی کے علاوہ وین س ب کا سب ا یا رکٹ سے ہیں ہا ت کہ لیو ں کیا کے انر 
دہ رما چوخور قرت خیزاوندگیگی کی نشا ہے علاء یک رکم تک بنا سے۔ ۱ 
ایی رٹ ںا مازعا ر کے فر کو ظا رکرتے ہے ماب تا ا مکوفوقیت اور ترک رک ے اور ا اوج یہ ےکا کا ۱ 
ا نارم و ا کافیضان صرف ایک ازات نت تک یرود دیس ے1 کے او رای رکچ ائ ر تارواں سے مشا ریک ہے 
شس رح چ ہو یکا چان جب اک ر کن اور جار رک کے سات ا پ وارز توو لول ال ے سیر 
٤‏ ہو سے اور ا کروی ا کہ بی ےجس سے رن فان اٹھئی کر تار شود یہ قوروشن وخر رتاس کر ا کیان اتا 
00007+ ٴ ۱ 


02 | ۲ 007 


e SE JJ‏ یرش کرک 3 خی می کی ری ما تر رع رک کے7 
اہر ے کےا کیکوئی یلت یں سے ای رع عابرا عم کے عاب کی وکاک وکر پات کات اور س رو عم کی میں شيره ۱ 
سے اس لے عبادت اق علم کے کی طور ےر ادا نیس وی .ا معلو کہ وا پا ال ہوگاوی اہ اور وید ہوگادی 
اکم کی وک ۔ایں سے رولوں نر یکیاہوا۔ ۳ 
کت ح ات کر ا وف ی 
۱ کر کے اپے اوقا تکالہ جح درس ودج مین ول کے 1 یکا کا دراو رر 0 کوت وی اورد کی مرو و اشاعت 
کے اور ایر سے ما دنس ہے جرتصیل عم کے بعد ای نگ یکا تام صت صرف عبات ی عیاوت یس صر فکرہجاے :نے 
کی اشا عت سے وی ہو ے او لم وم اک مق متا ےب ووچ وقت غیاو تی میں نشول رمتا ے۔ ۔ 
اور ظاہر کہ اگ مع مکی اشا عت :او ریم ول مکی فضیل ت کارا ارہ لیا چا ےآ علوم ج و کہ یکل افادبیت کے اختبار سے سب ٰ 
سے تر متام رتا ے اور چو جرحال یں عبادت م اسل سے جیا کے اکشراحادیث ے نے اپا حارم یواک ا رناب ل ْ 
) ا ابر خرن چ اوراب راتت مکل ہے 
کٹ شر لے ٹیس حضرت سغیا نلو ری کاثون فول ے' ش س میس دو فریاتے ہی یک ںآ طالب مم ے ض لکوئی دو ری پر ول 
باتک اوگوں نے مو کیا الوگوں کے خوش نیت یش فقیلت یس ہے۔انھوں نے فرطل توو نی کاب ہے ت 
ا سے ات ےآ ی سور ہی ے۔ ۱ 
ا تلباتو مخ لکیا جا ا ےک اتو ں ےہا نے نے ر م لک کرو ںودای کے تی امن ۱ 
) ری نیت نع اور مراف نی یکر جب طل بک م6 ذب پیراموا ورک کرو سے قل پک ومر رکا تی ام اور 


ہو۶ 
کی خلت کال سے یا زدازوہوسکا ےک خضرت مہم شاف را سے یں وط ےک رہز قل ےل ےکک وہعلم 
تے لل بکیاجارباے پا تووم شی ینہ ونگایافر کغاسہ ہوگا اور طاہرے کس یہ دولوں ال سے بہرعال اص یں۔ ۱ 
© زغن ين اة ليقن دُکزلرشؤل الله صلی اللُعَليهََلَم رجا اَحَدْمْمَاعَابدوَالاَرِعَالِهفْفَال 
7 رَسُلْ اله صلی الله عَليه ولم قل الام على اعاب كفطل على اَذَْاكُم ذوفن رَسُوْل الله صلی الله عََيه ) 
لم ان الله كته وَل السَموَاتِ والأزض خَقى امل فی جُخْرها حى الْحُؤت يلون على مل ۱ 
اگاس الْخَيز- واه الزائ وَروَاة الدَارِِیُ عن مكخُؤليٍ موسا ولم دزز جلا ن قال فَضل العام غلی العابد 
لی علیاذت گم تما هْذ؛ِالأية رما َخنًی الةم جِتَادِوالْلمَآغ وسر الْحَِيْتُ بث إل خرو 7ڑ ۱ 
) اور حشرت ای امام ماگ راو کہ سرکارووعام پت کے ا ےو وآ دمیو ں کاو مرکیاک اس می سے امک عاب ر تھا ور وو راا شی ۱ 
آپ سے چا کیہ ال روآوں مل ال ون ے؟ آحضرت کا رای ما ماپ ایی فقیلت ہے سیک ری ضبلت' 
اي ا شس ہے ادلی در ج کاو پچ راس مرآ خضرت پل نے رای بے اٹ تان اس کے فر او رآسانوں وزش نکی 
تام وتات ہاں ی فکہ چو شا ا سے بلوں عر چایان ا تس کے لیے دعا کے کرک ہیں جو وکو ں کو لای رمق مر مام 
سے ترفگااور دا نے اس روای تک وگول سے مرل طریقہ ق کا ےجس ہش اف رجلا ن کاک نیل ہے اورکہاہ ےک جر دہ ْ 
۱ عالم Hk‏ نے ارشادفیایا۔ عابر ی عا کو ایک تی فقیلت ہے بھی یی تہارے مرا سے ار وگ ی ہے کراپ لے نے ا 
پک انی الین وب ن7 ”مد اک بلروں یس ما 77:ص سیر تو رس سر رر رر 


مظاہ ری جي TT‏ ے لہ اقل 
لحم یا نکی سے۔ '' 
" شر بس نپ امہ اس ئن 
ضرت لال نے عابد اورا دونوں میں بہ فرق تا کیا ےک جس حطر می نم میس سے ان نخس خقیلت ا ہوں جو میس سے 
سج اودر کو 727 الا نی عابر بر ضبات رکتے۔ 
ظاہر ےک اکضت کو کو ایک ودک اص ر جوشبات م ےا ککانداز کیب EO‏ کک 
۶ٰ٥‏ ۶ ا ر ود 
أنخرعدیث کل کہا کیا کہ اکا مز کودا را نے کول سے بطق مس ل نل ہو سس کس 
رلا ن کاوکر یں لیے لب نک روات نالا ہی ں آحضرت کو کے سام روآ وموک زک رک یاگیا ایس میں سے ي 
غاورد ورات کک ات کرو ایک قال رسول اکا علیہ لم سے شرو ہو ہے۔ 
2اا ع نآب ويد الخذري قال قال رَسْزلْ الله صلی الله عليه سدم نالاس كم بمو اياز ي 
اقكار الأزْض: 7 -تفْفهزنْفِی الِب اذا تَزَكوفاسْتَوْصزابھم يرا رواو ک) 
”اور حشرت الو سی راو تیک رومام ٹا ےار شاو فرمایا۔ لوک ہار ے ( بی ماب a‏ 
: دن گن راف الم ے7 ار ست پا لآ ایس بب وہ ہار نے پا یآ یں تو ان کے سا تد کیٹا اھ تاملک ناس وزی 8 
نو0 اس ار شاو کا مخ رجا ےکوی جمائناے ا ا ا و ا ا 277 
پیٹواواام نے اس ے تام ونیا کے لوک تتہارے ال عم دک طل بک سے او رض کی اعاد نیک عا ار یی ان ین 
جا کہ دہ می تو ان کے سا تھ علائ کا ما کرو ان کی ہہ اشت اور ریت موی : کرو اوران ےرات شفقتہ و ینتک 
مر انکر :نان کے فلو کو ا س مقدل رو کے لے ہار ےتلوب یراہ را ست لطاب ہو کے نیس منو 7 
۵ زعن ا آي هُرَيْرَة قان قال سول الله لی الل علو َلَمالكيِمَة لْحکمةَْالةالْحَکِيیم فیپ و وده 
۱ بی و تی سس یھسے نټ وانز اهنم نن افطل اڑاوی يضتف فی . 
۱ الحَدِیْت۔ 
“او رتا و E 027 HE‏ کے ار یار را( TT‏ یی دک معطلوب ےار 
چا ے اد رذگ ےا کے دی فی اد اک یٹک ار اک ہیں یا 
(روارت خث شن فی خیا کیا تا سے س "زی داہن ا ) 
شر دیش اترک اور ساح ٹم اذا کون احا وشو رک روپک جک ی سے ییار قارع باتک جائے 
۱ تو کا تقاضہ ہو ناس ہے کہ فورا اسے تو لک کے اکر نف کیا جا اس 1 ود کی ا ضا انان ی را کا ضا ی ہوتا 
ہے ہہ اا کی ے اوک نرک بات ہ ےک ہک رکو میاو رتا تیا سے کا جائے جواتے س ےک کم رت ہوتھ 
کر کو اش لے نا ایل ؛عطظاء ور نات لم ل ارد سے وی چا ےک و بک بات اور چ وام سے اک وج سے عام کے کاس ےکم اک رکوئی 
سس بترو با تک وتوقائل قول مل چا سے جو حضرت پا طا کے ساح تل وو تی سے مقول رج دی 
ت اٹ کاو رلونڈڑی سے تو ا سے :ائل اعم کے توو ون مقرور ویر ہلا ےگا۔ E‏ 
مړ بج - ار رر 0 a.‏ گر وشت ست پر ار 


* نوا رش ہے ۱ 
شض ری قال شۇ ل الَرصلیاللّعَلي زسم فقيو جاخ على اشيا 07 
رواد اترزگ واین اج) . 
بور مضرت ائن مرا eA‏ ا ٦‏ ایانم کی ارون نر 
دے۔ ”زورک اا )ا 2 
نتر متا کا امول بک مال شس کے ح ہل جو ابچ تقل کے وچ سے کول وائفبھ اور ا کا 
: آوڑ اتاو 
چنانجہ ٹوو کھت ہیں کہ قایلہ ھار درس جو سے نہر قوی او شس کے اتپا ےکوی ای یں کنا ا سے ایس 
متقائ لکو ارد جا ے چرم وہر ن کے اعتبار سے اکی ب ےگ یکنا زیاددطاقت ور ہوتا ےلوک وہ جب ابل کا ےت ا ںکاد ما٤‏ .۰ 
2 یاد فور مال کے ہردارسے ہچوک گی اور ا کے اچراب اپ راد یس تاچ کی ی ہنا ےک ہکامیاٹ اکا کے 
ہوئی ے۔ 
روس ازس راوس سو کو رر 07 یرت 
مار ا ا تماق ےک و و ا ین رھت ووکم راہ ہوججاتے ۱ 
ہیں گر ایے لوک جو الک کے ہرذ ا کا وای رھت مس اور انل GE‏ یدن بی وو e‏ کے شوو ا سی 
کر کے محفوظ ر سے ہیں بد دوضرویں اوی تفوغ رک میس اوریہ لوگ وق جوم و کے ہیں جن کے قل ددما لور ا اکم ) 
ری ہے من اوران کک نوعلم سذ کی عطاقت سے پھر ہوتے ہیں 7 ۱ 
کیا لے ای مر یں فرای جا پان کہ شیا ن کے مقاب س ای ہزا رما ی طاقت رک می اتی طاقت تما یک عا کے اس 
موک کوک جب شان لوگوں پر ات کرو رب کا جال ڈاماے اور ہنیس قوا شات قرا یس تاکر ری کے راست ر کاو 
۱ اتا ےتوا ما کی چا ل بک یتاچ چنا چ دہلوگوں بر شیطانکگرا یکو رتا اود ابی ھا اسر تادا چن یگ لکرنے 
سے و حبطان کے ہر کلے سے فور جے یں 
مرخلا ق ای کے وم سس س سی سپ یی رت 
وعیابرہ اور کہارت میں شخول رتا ہے اسے یہ ہرگآ ہونےپا ی کہ شیطا نس چوردردازے سے ال کی خیادت من نک وال رم 
اور ایشا کو وی لیا می کر رہ سے ا تا کہ تام ری طور روہ عیاوت بل قول رتا ےرل م ہے کوج ۱ 
اق کے من ٹف ین چنساہاہوتا ال لے ہو شود شیطان کر( بھی سے 07 کتبا رک سا 
ےہ 
لوگ عن انس قان: ا زشؤل اللصلی الله عل سملب الیل فر على لملم ةراغ 
٠‏ العم عنذ عير آهل کووھاز Ga‏ َب رَو اي اج رزوی لن فى شب الايمَان 
| الى قَولِه ملم وَقان هذَاحَدِيِتٌ رن ونونف وَفَدْرریَمِن اجه کلت صَعِیْفف۔ 
اور حضرت ا راو چ کیہ رار وام کا ےڈا کم کنر سکیا روو ورت پر فش ے وو ا و کو عم کان لیا 
"اس نی ےکوئ یفص سور کے کے میس جوا ہرات: مو تو اور ہو کار ڑا ہے زائ ماجہ) اور کی ہے اس ردا تک و تی 
ال انج "کک کیا اورک کہ ای سیکا کی مور ادر تار ضیف اوہ دی ہف طرچوں سے 
یئارب شیف یں۔" الات ) 


FF‏ .` ) ےا بر ازل 


مقا ل بر ّ00 83ؤ" e‏ > 0 ) سد اڑل 


7رت نے PS DEE Dea‏ | 
رو رک ہے؛ ال س کہ اتان جس مقع ر کے لے حلیطۃ ول بتاک اک ونیا کا کیا ےوہ ا یس موک انان لق رم 

ا اوت لٹا ہے اورت اے ا 11 یی کا نان جا اکلہ ہے۔ 
ْ ساکہ پل کی بای کیا ےک بیہاں علم سے مراد ”مد ا اچب ) 

زی لدان ہوا ہے ؛ ال وشحورکی ضز لآو سے اس پا تک ضرددت مرل ےک وہ سپٹ پیر اکر ست والےےکیذات اور ۱ 

ا کیاصفات کی حرفت حم لکرمے او رقا ن الیک مق روڈ سے قل ودا کم لمت کروی کر مکرے۔ ای طرح رسول 
ین ذت ور سال ت کا انایا کی چیو ں کا م اکل نان پر یمان دا سلا مکی یاز ےکی کے لے ضرورکی مرا ے۔ 

ب رجہ کی زندکی سے اسے واسطہ پپتاہ تو اسے شرورت ہو س کہ اکال کے 6 کم ہو جب ناز کاو تآ کے تر 
ا رازا ام وممائل تاوا جب وگا۔ جب رعشا نآ ےکا آوروڑےے کے ایام معلومکرنا ای کے لے شرو ری موک اگ رخھدا 
نے اسے الیو حت رک ہے اور صاحب لصاب ےو لوق کے سای ماقا ضرو رہوگ جب او یک یتو ہو یک یکم س و تو نیش 

5 ای کے سال طلاق A CC‏ 

واضتبہوگا۔ ۱ 

 ْ0 1 ٰ‏ و کی داجب ہو اگزیازنریکاکوئی شع ہوشواہا ارات ہوںپا ۲ 
عبادات؛ معالطات پول پا تعلقات: تام چھڑوںک' بحاص لکنا اور ال کو چاننا کٹا اش پر ڈنل جوک اگرژ9 الا کر ےگا تو ا کی 

وج سے وہ چرچ مدود رجت سے شاو زک ار ےکا اود تیدام و مسا کی اتیک نار ایکا ر ہل ول فلاف شرییت ہوا 

نکی وج ےوہ کن گار Ef‏ 

ن حرف نے یج کہا ےکہ یپا ں عم ے مرا وس و ا و ×ط دع ۱ 
سے رور ےک وہ لف سکی تام یراون لد خض گی دادور تاوما اور ان زول کا ا مل کر جو اعال کو 
سر ال ریہ سے کی مح زگ ری رانک یں کے فیپ شل ہرک چ ج ا کے ال ہوتے یں وای 

کا میلان اس طرف موتا ے نیج کی تی اتراو وصلاحیت ہوٹی ے )سے م سے انفائی حعقہ لتا ے۔ ایز اعم سکھانے یں اس ٣‏ 

بات کاشیال بطو رت س رکھنا جا ےک ںی ی سٹیر ارچ اوروۃ بس میا رک ملاحیت رتا ہو ابی تقار سے سے عم اہ کے ۱ 

۱ ہونا جا ےک کک کی استودادوصلاحی تو انا م دز کس ےر لم اے اتال ای ار کھایا راہ Li‏ 
اکا ون تا ے۔ جوک میس مر ورک وو او رن س کیج وگل جوا کے مطااق ما ہے شل کرک س عوام 

ْ ولا کے مات ری توف کے راوسا او اک ار یا نکرنے گے و میس اس سے فئمہ ہدنک رہ اورزیاہ 

مین یں ۱ 

9 وغنا ان فوتر ف قان شون الو 1 1:10 نن شش وا 

ِقَدُفی الین ۔ (زرواہ الس گیا) 

"اور حضرت الو ہر رہ اگج کہ سار ردم ا نے یں سای وت قش رھ یس ہو ری 

وو ریز که یا) ۱ ۱ 
۱ وہ یش کک و کر ہے ۰ 


0 


٤‏ نابرق تر ر ۲۳٢ ْ o.‏ لاان 
با کا چک وای او ںکواپ راکرد ےلیک مار اچک اغا امت تن ادصاف کے جدہراپے اندر 
ہو ئےاو عم حا لک کے دیج ید "020 

اح قور ی فراتے ہی ںکہ فق فی ال دن رن کک ت کہ ول دک مرف کی ہپ زین ےس٢‏ 
لامو اور اس کے مبلا یکم لکرے جس کے سبب سے کو قرا و قحال ہوب 

بر ہے سی شش لخر 

(رواہ اک دالعا گا 

”او رحخرت پر a‏ یڑ نے اش یل وص کھر ما کے سے لے ا تووم چیپ ی ززم 

اول ن آہاسے فداکیاراوشل ہے۔ "نر ا ار ا 
شرع اس ارشا وکا مطلب ہے ےک جو ا نے زز دقار بکوچھو ارس سیب شص طف ۱ 
مام رنج تڑ کر کے کم رین حاص٥‏ لکرنے کے سے اسے دن وشہرسے کے خواہ وہ کم ڈت تی ہو یاف کناہے شی ضر رت 
۱ وعات سے زیا آووہ طالب م ماد تی یل ال کے خرت کاب سے چو لواب قد اک راہ شان چھاءکرنے وا ےکو ہوا سے وی لواب 
" ای طال بکوبھی متا ای ےک جس طح ایک ہدس کش باند ھک رص اس جذبہ سے میران نک م پا ےک دہ دا کے 
دی وربائ دکرہے اور دا او رخ دا کے رسو کل کے ام کول بال اکر سے یط اب مک اس متم کے لے عم ین ال ۱ 
کر کے ےکھرسے خلا ےہاک وہ ات ےل کی تام خوارشا کو مک کے )و رکس نی خت رک کے کا کی ری رو سے 2 
وش لکی تما تاریکیو ںکودو رکرو سے دا کے دی کو تام ال می چیا سے او شرولا ےک روفریب سے وکو ںکومحخوظ رک کر شیطا نکو 
یکل وخوارکرے۔ ازا جب تک م کیک رکے؛ب جےگھرد یں فی٠‏ ںآ جا ا برای رمیران چا وکا لواب ماک رار کے 

راس صد یٹ مل اس طرف کی اشارہ کہ جب طااب عم صمو ل کم سے قار وک اس ےگرداچ ںآ اتا ےق اس ے بھی 
) زا رت اوج پت ےکک جب ویم تل کرک وا تو مد حرفت کروی یلانے وگ کیم ےار ۱ 
کول سے سے کے لے او کی ٤ A‏ 
میکی و 

0 وََن مغبز تر زیچ ق قا وشول الو لی ل اید وعم قن کلت الک وکفَرَه مض زوا 
لزم الذارِيِی ون اِزذِیهذَ حُدیت سیف الإستاد راز رذاودالرا وی يُصَعَف۔ " 

”اور خضرت ج ارک راوئی ہی ںکہ سار ذوخام پان نے فر چ علم طط کر ے آوو وای ےکر سے ہو ئے ( خرو کناہوں 
کے کفارہ ہو جانا ہسے۔ ا لا جح یٹ کے ایک ر اوی الود اڈر( ات م ری ٹڈ )شیف شار کے جاتے ہؤں۔'' ) 
۲ © وغن اہن سمو حدر قان قال رمزن الله لى الله عليه مان يبع مز من رنڈ خٹی 
۳ کون مها لبه (رواه ا7ری ۱ ۱ 

”او ر حشرت الونسع ر غر ری ok Sts!‏ گلا ےبد سو کے رس اکرش مل 
کا ے بہاں تن کے | یک راجت مرن ے۔“ رر ۱ ۱ 
اش ارک اد ورش زیاپ 


ا او ریت یراہ سے آپ ای کن ادگ ت ے کے ی 


PF E E‏ علر اولي 
۱ و وو می یں رر شر ہے 
ماگ بائ رلوں ہیس پچ جاناجابتاے: کی وج ےکی م ویک ن کا س ٹم سے بھی و سپھرتا وہ جوں جوں مع مکی بلند یں اجا رتا چ 
اک کی وا مس وتمتائای رآ ےک وای مز لکی ایی مرو فص جا ے اگ رح یہ عم کا میدن چوک ما و ےہ اکرائان !اک 
سے ٹک زندگی کے ات کک نک کار سے اشر کی یس دوٹتارہے تودہ ا انی مر وروس کی سا کر ای 7 وع 
ام عم رس کی وی میں رتا ے اور وہ عص کے خ ری جج ے میک حلم کے راک وون میس جیابتا میہاں تک کہا لکیائندگ اس مقررہ 
وتا 1 وبال ہے اوردہ ر7 سس سارت طلب او ری بیصن کے وش" ٹس یوون ار مصروف ہا وق تک ادگ سعاآوں سے 
ار ڑا پاتا 

در یقت ای ریت می طالب عم دود ایل م کے لئے نر رم و ایآ ۱ 
ہوتے ہیں اود رضا کے موی سے ال نادان وتا سے اوج ےک اکر ای الا زن گی کے آشری لو جک حصصول علم میں نرک 
7یت مل مادجود مہ ا نکی ھی ففیات رت اٹل درجمو 7ر1 سی سعاوت کے حصو ل کی نا راب مش یش مشخول 
ارت ب 
۱ اس نا لہ ش اتی با کی زان می رک یپاک ادام ہت سم تع رشھیات ان 
| فرات جو ڈیف راف او حلم فلکم می مشغول رہن ہیں و ھی را طالب علم مس بی شنو ل ہوتے ہیں اس س ان کوککی 
طب م اول عم کاب ا اور واک رمل غار کے جات نیی۔ 

2 رن ارافان زسؤل الأول الله علیہ لقن شيل ن علو غيعة م كتخةالجمبزة لیا 

لجا منز نازر زَوَاهٌأَخْمدوَابودَاوُدَوَاليْزمذی۔(وروہ ابن انگ اں) 

۱ اور ضرت الوم ےہ ك,-ص 9+ EOE‏ ا دزن 
ا( جن ایس تو قامت کے ون ام کے مد مم ا کک ام دک سے ل لوڈ ھک دو سڈ 
رت ر (i‏ 
تح : ال میٹ مل ا ہے عا کے بارے TE O‏ اور 
ےا کت ات نت تی مر کور مت جک نی ریو وق و ول تس ١سام‏ لال کا ارادہ 
۱ کے اور کی جا سے کک اسل ی تقابرات سے بج گاوکرد اور جا کہ الا مکی چ ر ے باوہ فما کے وقت تام سے لوا ہک غاز ۱ 

| کے چو اام وغ ای ہیں ان سے کے اکرو سی عار وترام جچزکاکوئی نتوی معلو مکنا چاہتا تو الع سب چزو ںکا؟واپ دیا اور ` 

03۵0" ہا کل اسے معلوم ہو ںی بات تاا کے لے شوگ ار داجب ہے۔ افو ما چون کک ہار مک کم م 
و ۱ 

© رن کب نيِماللبِ فان فلز س0 سز ل الول الله غلَیو سَل من لب الو جار هلما اليِمارق 

بهالسُفََاء اوضر ف ہو جو الاس الو أذ له الله ار رَوَاۂاليَزمدِیٗ وَرَوَاۂ انل مَاجَاعٍَِ ابْنِ عكر ۱ 

”اور ضر تکحب اہن ا رادئی چ کہ سرکار ددعائم ا ےار شاد قرایاہ ہیں ر وو ا ی ی سے جا ی کی اک وس کے 

زر علماء تر و شس وہ یی ۱ 
تنا اور انی ات سےا می شک وحضرت ان کے رای ٹکیاے۔“ اغا ٰ 


تارات مدي ) کسی ٠‏ لر اقل 


2 عم اتی لات ہو ورایت کے سجب ریاکادگ ور ہی می ترجہ 
جب عم میا وی نکر ای چا نیا کہ وہانسان کے ول وون سے عم و لک تارود رکرردےتو یکی ہروا کیا جا سکیا کہ ۱ 
ایک ھا جس کے ران کی مقدس روش ھر ہو ان خی اسای و خی اخلاقی و ںکامظاہردکرے۔ عل مکاقاض تو ےک ایک 
انان ب ورا ات او ریم وترگ یک انھائی یں پ ہن کے بوجو بھی مایا ا لسارو نار کرک دخودنمائی سے انگ 
رے اور اخلاقی وا تما نیز گا خت رج رے۔ و 
ا سے فر ایا چا رہ ےک اک رکو نی عم رج رواٹ اکر ا سک تمر ہے 
2ے لم اض لک 2 لوک جار رف تو ج ہوں کرام پر ای وا کاک جم اکر ان ے ال وروت ما ملک ےو ) 
ریا کےکاروبار او رفسانی خواب شیا تک می ل کے ےل کرای ایا اورنہ مرف ی بلک کم ماک کر نے کے بعد وہ خلا کے ساتھ ۔ 
خرور وب رکا معام ہکرتا ے٠‏ جاپلوں سے تواہ واا کا رمتا سے لوکوں کے سا نے ہے جا زو ما ات کا منظا ہر دک رتا ے .تو ا کے عام کوکاں 
کیو ل کر س لیا ماس کہ چاے وہ دزیادوئی اختبار سے ات مقار دو نو زی و و و جا ا سی 
۱ کیل کراس ےکرآ رت شل ال کی تیت کےا ل کوٹ لوج ہے ال سے خت باز یں موو اس تہ ایکا کا مآ کے کاورد ال کی 
"۲ سیاوت ووجاہت با کو اس حدم اغلا کی سز میں طذر“ یبوک کے تم کے علو ں کے جرا ےکر دیا ہا ےگ ) 
إں: انیا نس جو سلے تی نیت می کک تی اس کے ارادہ ین امک اوی کوٹ بیس تھا ور بن کا مقر کل کے ے کش 
اع کر اللراوررضائے موی مھا ینتا کے فط رت وانمالی ججلت ایک نیت می لکھوٹ رام وکیا اور ال یں ووو 
۰ در رکا شر وگیا وا عم میس داش لیس ہ کیہ اس حاط ی رمال دہ معن ور ہے ۔ ۱ ۱ ۱ 
© وَعَن اپ خُْریْرَةقاز قا رول الله صلی اللهُعَلَيه وَسَلَمَْ هَن کلم عِلْما ما بِکغی به وَجۂ الله ليه 
لیب بمِعَرضابن الال >َج عزف الْجتَةيَوم الْقيامَدَِقییٰ ر يها رواد ام دالوداذد وا اج 
”اور حشرت ا وچ رر راوگ یں کے مرکا ر دوعا م اتا سے ار شار رای ی نے ام کو سے ال تھا کر ضاطل بک جا چ 
) ۰ ا ی جا ضا ماس کر ےتوقات ہک رن ہے سے لک خشی یئ ری مل" ) 
۱ (ا الوراڑر ان ماجہ ) 
تر 0 9" 
۱ وو کے ےوک ما نرا ھار ات و ۱ 
ہاگ رح ونی نہ ہو ونیا وی ہو تو ال اوس مت کے کے 7777 4ؤ 0 
رق ریس لیکن ا شی چپ رنج کہ و لم یاد ہو جس کے حصو لک ر شرت درست تریس دق _ عتأ لم وم 
) وخیردیادوسرے الیےعلوم جوحقید ہیل ر اشر ہنانز ہوتے میں۔ : 
.. افا اہ اہی ھا م کی یت حصول عم کے سلسلہ می خالصاولہ د ہو اسے ہق تک ویو بھی میس نی ںآ ےکن 
: اہ چ کشت می رم ول سے اور مال ہے گرو جن لا ال سے ماپ چک ای یم اورب بندوں کے 
رد فی یراب کے جشت می را ل ہوگا۔ ) 
9 وعن ابن مَسْمُزد قال فان مول اللہ صلی الله عله سن ضرالل بدا یع هقان هاو زعام 
اها قوب حال فو عو فقي ورب حال فقو الى من هو همذ لث لايل عله قب ملم خ٤ض‏ 
لفل لل مس نت شش سو سو سے 


تاران دی د ۲ ہر اقل 
من رو٥‏ اخم ومذ و اود و اج ولڈار هى عن دن قاب أن رئ وداوم 
۱ یذ رالات لايِعُل عَليھِنٌإلی انچر . 
”اور مضرت اب سور ر راوگ چ کے مرکا روو ی نے ار ارفا اللہ تیل iy‏ زا کی رر و ضزفت 
۱ بہت کال جو اور ا سے وکن وونیاکی خوفی ومسرت کے اتی رک ضس نے می کوقی با تاور سے یادرکھا اور جیشہ یاو رکھا اور ا کو 
جیا ستاو بہولوگوں کک یہنا کیک لن مال فق ین علم ور کے کیہ اڑھد دا انیس ہوتے اور حائل نہ النالوگوں 
تک یاوس ہیں جو ان سے راہ ہہ( دا ہوتے ہیں او رشن تی ابی ٹیس جن می لمان کار تیا نمی کر ۔ ایک تل 
) خاش ھور پے خا کے کنا وو ہے مسلمانوں کے ساتھ بعلا ےکن او رجیسرے لانو ں کی اعت کو لن پچ اس سک ےک جماعت 
گی رعا ا کو چاروں طرف ہ ےکگھیرے دوس ج راق کی و ٠‏ 


مرح :مطلب یکلہ یر کو کقوظا اوربادر کک زا نے ن وی ہوتے میں جوشورزیا کے وا ر س ہوتے اورا کی رھت ہیں 
نہب ابی اک وو ٹس کے سا ے ریت میا کرتے ہیں دوان سے زیا کک رتا چ لزا جا کہ عدیث تل کر کا ہائے 
ای طرع دومروں تک اسے ہوا جائے کہ تس ںکوعد رت کال ارش ہے او رمک کے سا تے ا کیا ارک ہے دو ری تکامطاب 
ول 2 سال یکاک طرف اغا کرد مک راد مان اعد یت کو جیا جۓے لہ ود سیگ کل مالقاو کی یس ھینہا؟ یں الما یں 
ري ) 
”ی“ 2+ +000 ا ےہ اد ین کے زیر کے 

سماتھ ہو با رف یاک زیر اور تان کے ین کے اھ م وآو انس کے می کرات کے ہوججاتے ہیں چنا چ فربایا جار ا کے وی ان من 
چچوں می خا تی سکرتاش نوا کے۱ رہن یی ال ا و وجب من سے تو ال عادر ہو ےی و 
کیا سکین داش ل یں موت اک ذا سے ان چڑوں سے تر فکررے۔ ٠‏ 

”خلو سکم ا مطلنب اور ا یکا ای ری س ےک بند جو لکرے ودک اٹ تخا کی ٹوش نود اور کی رش کے لے کے 
ر می کے لاو س کا تتم رکو وو سرا الہ تو 0 وٹ اترو ی فصت صرف رضاے مولای ہا ہو 
او روا جا کل مت پھر رتو ھی دوور ہچ ہوجاتے !وں۔۔عام لوگو اجوخ وی مل ہو سے ود تا یی۔ یی الاب کے خو کے 
رر رج کا ہوتاے کوک نہ لوک ابیاریاصت و اهاور لقع وریز رر غر لک اشمائی بات ہیں مک کے ہو ہو نے یج 

مسلمائوں کے سا بعلا کا رھ ہہ س ےک تق ےج ےت رع وٹ 

راہ کا ےک شش کرتار ے ند نیاوئیاخیازسے اکا اوداتعا تکرے اور ا نکیا کل می خی کی ر س0 

) لاوک جا تکولاز ےکی وک نگ اک ہرم رظ پراشا کی تکے اصول کرد سپاو راچآ پکڑگ 
انفرمادی تک راد بر د ڈاے: علاء وین اور علائۓے اق کے متفقہ عقائ یی اور اکال صا کی موافق گرا ر اور ان کے اتر . 
رے۔ شا نماتجعہ اورجماعحت ویوش ان لوگ کے مر ور گر اھا ع تک ورو دے اکم الا ی طاقت وتوت یی گیا ضاقہ ہو اور 
رٹ دا ول ری کے ترو لکا سیب کیب ولوگ جمانعت قد ارت موی ے۔ ۱ 
۱ من زا عو کے اض نمخوں می پیم کے زے کے ات سے او رش تقون می زیر کے ات ۔ ای ےکی ےی ںک ) 
ذ3 شیطان ک ےکر وفریب سے کے کے لے جاع تفکوملمانو ں کی وما ہے ہہوئے ہے جس کی بے وشلا ن یھ رای سے ی ہیں۔ اس 
ماس بات یہ مقصورہ کو علا سے دی اور میا اق تک اعت سے اپآ پکو کک راہ ا یکوت جماعجگ 
ٰ مس کت ساست ٰ " 


ارک ہے 1 MRE‏ 7 و 


60 کا س قشعو قال مَمِعْث زشژن الله صلی الل عليه قۇل تضرالة رأ سمغ ابابلا ˆ 
سَِعَذَرب میلع اغى لمن سابع روا اذى وا مَاجَهُوَرَوَاهُالداربِیٌ عَن اہی الدزْدُآو۔ 
تاور قرت این حور ڈ راو کہ شی نے رر ددعام کویے فا ے ہو ئے سا نہ الل تال اس رازو کے E.‏ 
ات کے )یں نے کے ےکوگی با کی او ر رج کی کیاکی رع ا یکو اھ ریا چنا ہکٹرد دلو نی جا یچام ہے من وا 
٠ >‏ ےزیادہیاد دنن والے ہو ہیں ۔ تر رئیا اکن ماج ااوردا رگ کوھ٘ ری رھ اھ" ۲ 
نٹ : آنحضرت کک کی مقر احاد کو نتا ان کے اعکام رک کرٹ اور ان احادی کو وو سے لوگوں تک بنا سجارت ' 
ورت اورد ںود نا یں ظا وک میا گازراجر ے! 2 0 حم کیا خر مو امان ے ۶ اجاد ہگ ویک حلم کم وا او ںان کی 
خر یکی اور ر ضا ے الیکا سیب سے کیان وس کے باوہودعلما معت ہی ںکہ اکر ج ریش کے اص٥‏ لکرنےہ ای کے یاد ر کے اور اک یکو 
دوسروں مک پہٹھانے میس اگ لفن ما لکول ارہ نہ رتا e‏ تی سی کر تی 
ورمت کے لے عضر کٹا کی مق دعا یلیہ وگی۔ ۹ 
9 عن اس قال :قار سول الله صلی الله عليه ؤسلم ٹوا 32 کر رر شر 
مب لسن گر زرۂ زرمذیٰ رزۃ ان معي الپ مۇد وجار ولم گر اقرا الْحَدِيْتٌ 
عَيِن اِلَأمَا عَلِمْتْ۔ 
”اور شرت اکن عیاش وی ہی کہ مرکا وعام پل ےار اورا 9ع 00م)' 
) یار و )جاو نیج سفن نے (جا نکر بے پہ جھوٹ ول ا سے چاسچ کہ زواینا کات ارون ہا کے( مرگ ) 
اور اہن باج نے اھر کو اتان سر سے وا کاچ اورا یٹ کے پچ برک جانب سے عدیث وا نارف سے کے 
تم کوک رخ کیے_* 
شس 0+ ہہ" ۹ ۶ سم" 
وو ادف E‏ ی کے اسے لرکو ں کے سرائنے بیان راچا ۲ گیا اد سی کو با نکر ناچا سے ن کے پارے 
۱ میس ین پان الب کے ساتھ یہ معلوم ہوک و آپ پیر اصرف ا آرت کک ک زات اق ںک طرف نلاعدیشگ 
ہت ن ہو اور ہآپ کی انب جھوٹ باتک انتما ب ہو پت راک یاب سے تزا بک ترے۔ ٣‏ 
) 0 ورعن انی عباس قا قان زمزن الوا بل ايدو سام قار ای رر 0 
روان قان فى اران بِقَيرِعلْفَيَبزَأْمفْعَد من الار- ١‏ اتردئ) 
”اور رت این پا راوگ ہی ںیک رکا زعام ڑا نے ار شاد شای جس یس نے قران کے انر ۱آ 1 نے | 
le‏ شب شل جلاش شيکرے اور اک ر و ایت کے الفاظ ے نک یں یس نے بخ عم سے تر 90 کہا اسے چا حا ےکس واا 
ناروز یں اک ل ی 
تم :ر حدیث چا کے شاا ےکک دای کے اکت کر ریاف یں 
ککرنے کے ہارے ش بھی ھی تاطس ےکم ےک رات فررالی جار ی ےک آیا کی وی ییا نکیا جا جو احادیث سے ات 
اورعلاء قت نے منقول ہواہو اوج قل ند موجود ہو یہ نہ ہونا اہی ےک ہآیتو کی تیاور ان کے طالب ومتقاصدیپا نکرنے 
پیل اور را کوٹ دا جا کیہ اط رن ےہ a‏ سو سکیف 


مظاہرل رر . | مم ۱ مم" کھلرلال 


9 عن خنذبۂ فان رمزن للصئی خلت کا فی الان برأب هفاضاب فم غطاً۔ 
۱ (رداہ اش ادا وداڈدا 
” اور ظط ضرت رانا 0 رار ووی م ھ2 ی نے قرنہشی ایا رائے سے کہا اوردہ 7 تو 2 
عطالق بھی ہوتو اس نے تب پھونکشیکی۔ ”وک اوداق ۱ 
تش کم نف ےی کسی ای کاب تی یرارف مب تاور علا ےا یرفن 
ایل وراے پربھ روس ۷رک ےآ ی تک ینف یا کر دک کر اتلاقی سے ا کے ییا کر رہ تی ری اور یقت رو اق کے کل مطاب موی 
ےی سے ہمت کے و الب ع کول ی یں ہو قو ای کے بارے شل ڈرای اھر پاس ےک چیا ےیک کیہ کو 
و رچ وکل اس نے قصةا وی شل اور را ےک وتر کی لے ریس ول وی او رت رکاج وش رک تاھ رہ وط روہ ے کی سے ا گرا فکیا ال 
لے وہ بھی طا کار کے کک مس شا لکیا جات ے گاج رکال ای کے برک یچک ارد اپ اجار شی ھک رجا گے تو ا او 
شہ صرف ہک کو مواغیذ دی یک ارس توا ب٠‏ کے . ْ 
”تفس ' o‏ و میں aaa E‏ 
معطلب کی سے اور یہ بات سوائے ایل تفسی ینف کے ج سک سن رآحضرت پا کک ی ہووزست یں ے ی ان اور 
انان ای رر اوج لا اور مد فر سے منقول کیک او نے دا اد سالب یات مک یں جوبراوراست 
سرکارددعام 2 سے قول ںاور جوواسطہ پالواسطہالن نک ہے ین۔ . 
لے کے ہی پک ہی یت کے مع عطااب انکر ہوئے اطلق ال کے یکا جا ےکم لا نکر اہوں 
اور تکی جو یرک رراہوں ہوسکیا چک مرا و | س کسی درمت اورک چ کن یجب اا رای 
ری اور شر کے ما ہو۔ 
2 وع ای شرن زةقان فان ۇشۇ صلی للَعَليِ مل اورا فی امزاي کفر- روہ اددام 
”او رتضرت ا و رر راوگ ی کے سرکار ذوعا ٣‏ ار شاو یا ق رآ راش ھڑپکفرے_* ا ‘hs‏ 


7 :الع لواو کا وار وک کے لر رای سے جر قران کے نی و مطالب او رماعو وم راک یں جس کے رت ہیں اور 2 
کیل می جو ہے ا کو اورک ئ کے ہوئے اب تےکر ےک کش شکرناے۔ نا ی ہگ ٹم لوک نکوجب تاز فور راک 
یو و قمر کے اط سے ذر ق نظ ا وود انش سے ایآ تک نال انتا انل تیو ل او :فا استھا را ہد ےکر 
07 ری اوران د مر رو یے و ےکا وا ی ایآ ایگ ےت رو سی ہت توا اکرو ا 

اہر ےک ایا گر :اشری نل ارے انا جم ہے بک ای کل مس کہ ددوں جس با بھماخاف ولا نظ رآ را 
رولو شل تاا او رتوا کپ راک ے لوت ک ری جا سے اک ری کے لے ہکن د رتوا سے یہ الا وک رلینا چا کہ میرک می 
اش یہار ےوک ب وراک الاو رااش کے رو لکیطرف وپ وس ےک وی ہپ رجا نے وا ی 

قیو سب سس ری س شی رھ وی ضیاد ا لآبیت ت یں 

کہ ارشاد رالا ے۔ 


له آپ تا Ia‏ جنب ای اللہ انتا PRT TTT ET‏ ہے بل ریا اک وقت ہے 


ُ ي فلز لہ کے چا دنا آپ ک اال برا ے۔ 


ظا رل جرد ما 8 لاقل ر 


5 شی (اسے ر جنگ ابی OES‏ : 
7 - ءء,-7ھ/ میل پاک جح اور ساف دای ے۔ لین اب ترد ا کی ٹر کرت تیاور ای کے 
برخلاف انا ہیل کے ہوئے ہی نک خی کا خالقی خداہے اورشرکاخالقی دای ہے او رش رکاخا قود انا نے اور ا عقظیر وی 
80 ریت ہیں جو انآ یف کے فقاو ےکا رشازر لی ہے۔ 


۱ ما اضَابَكمِنْ حَسَتَةِقَمن الله 7 كسفن فبك : 
| ”وی اسم شک یمیس پک سے وو اشر کی طرف سے سے ادرج ام پرا تی کن ےوہ تہارے نف سکی ہاب سے ہے“ 
یہرحعال اک کے الات اورآنینوں تار رکا سے با چا رو مکی اایٹوں شش باآیت کل کیاجاۓے ٹک 
رم الو ںکا تفال و امام ہو ادرد وسر آیت شا سی ناد کا جائے جو شر کے مطاان ہو جیس اہین دونوں ‏ رکورو ال آیت مل“ ۱ 
راچا ئآ اج بر مسکمانوں کا اتا ل تیر ش تام ال کی با بب سے ہے اورپ تن ای کے مطابق یول ال 
بن لکیاجائے۔ ْ 
دس یا گا یت ویک چا کک ورام ا آ یت ق قش کت سے ےک اس شن ماش نکی رل اوران عقر 
یا کیا جاربا ےک !لن مانتو ںکوکیاہداے جوکہ انس جروجو اورو اٹ ہے نمی ہت ہی کت ہی کہ نی ولا قوت کی طرف سے 
سے اور یرای خود دہ کے کی انب سے چ کیا رع درو یتو میق ہوا ےکی ال رع دک رہ چوں می گی 
۱ معطایقت دای جائے۔ 
2گ رع غفرونن غب غن اپنوغن جََوفن: مغ اتی صلی اللةعليِ وسم درز نی فرایلن - 
اهلك من گان قَلكُمْبهدًا صْبُزا کاب الله غه بض ولارن كاب الله صق بعص بعصا ف 
تَكَذبۇا غه بض فما غلم مَنْمُلَمُوْلوْ وَمَاجَهِلْمفكِوفاِلٰی عَالب ز راا ای اچ ۲۰ پت 
ا ا یاو ےرات ار وا کا ےے ایک چیا عت کے یار ے مل نا 
کو شقن کے بارے شک کر ر ے ہیں اور کر ر ے ہیں۔ چا ہآپ پل نے فرا کہ بے قرفتم سے کیل کے لوک ای 
سب سے ہلاگ ہوے اٹھون نے کاب اف کے کی جع کو کی مارا( یآیات مل تار اور اخلا ف ٹاہ یک کہ فلا ںآ یت لاں 
آیت کے الف ہے اورییہآبیت فلا لیت کے تالف ہے )اور ہے تتاب ادف رای ہیف کی ت نک راس ایانم قرآن کے 
۱ کو سے د تب سا سد ا کیان یش الان کر 
موت وو اما و دی ماج ] 
شس :جب اکا سے میٹ زر پا ےک ج لوگ طم ایی ن ری ار 
یس کت ت ا اخلاف ید اکر ےر سے ہیں او ریت کے تی وومر وسے ہہ ٹکر ا ےی انو تر ج 
موم اہ اس وان کے اھر طرزپ اچ تر ات وا قاواتگا اد بھی رک د یں تک شال بای کی صد ی مل ) 
نکی ما ے۔ 
ا لیگ یپک کک ع تقافر ہم اد سر س زی ٠‏ 


۱ لہ رد بن شیب ۲ک ل رالاس شی ہل عنم کے خحائد انا سے ایا ۱ 


لح و ق سم 


E mA en RE‏ وذ 


اوی لے TTT RIE VIISNRETITE TTI‏ 
ایس یس ای ل وک کے ت رچا انس کے ل و نہوم کا ماش اور ال کے رسول اب سونپ دوہ اجر ا سے غایاء و اء جو ۳٣‏ 
کے اظار سے مم ےا لی اش ل ہوں او فوقیت کے ںان کا ات 

9 دی نى نیرک ئن رخری تی عم ان لی اھر تر تكو 

نو وی ملع رود ف شر | ا 

”اور ضرت این و ڑ راوگ مج کہ سرکار دو الم ج نے ور شاو قرایا - ان لرک ات ر ازل کیا ےن می سب ایت : 

ظاہرے اور نے اور رر کے وا لے اک ںہ دا ہو ےک ہے تج ال تۃ) 

و 2 - 9 - تس 0 : 
کی سات اغات عرب مس مشہو رتس ءا کے بارے نیل فرایا جار پاس ہک قرآ نک رکا سات طرح ی رات اغات پرنازل ہوا ے۔ 
| نن ات لفات کیال اس طرحع ہے لت ر ولف ے خت ہوازرن ات اال کن :ا اف تل اورافت 1 

نکر سب سے بل ری کات کے ماق بزل ہوا تا جو ردام 0 
کے طا ن کا ہما چا اس لے وخوار وکل مودک یی ور رقو مکی نی ایک تقل لشت اور بان کے ب واج ا انف ال 
ارات یا توسکارد ونام پا نے بارگاہالوبیت یں وروا ست پیش یک کہ اس سا ر می وسحت کی چا ےلوک وے اکاک رکس 
ران و ای ات کے مطاا ین سکنا سے چان حضرت مان سوس بس سر سو e‏ 
رآ عة رچ ۱ : 

کان جب نضرت مان تن کلام التو اورا کار کر سای سلطنت کے برخ کل ا سے بھی7 نوا نھوں نے ای 

اخ تاو مل قرار اس حضرت زین امت نے حضرت الوبکر ران ےکم اور ترت قارو کے ورد ے فرؤ وکا ۱ 
ا ادرولخت قرشل یه ضرت تان کے م بھی فیا کہ تتام لقات مور کر وی چا صرف اکا ایک لخ تون رکھاجائے۔ . 
پا 7 ت شا کے ھی وجہ سے نہ مر ف یک ان صرف ایک لشت میم ہوگیا سے وا کے چ خط کے لوکویں کے لے ٰ 

آسایاں ہو بکلہ ا کی وجہ سے ایک بڑے فن کی بھی )کروی اوہ ی خاک لفات کے اانا کی وچہ سے مسلران ااال 
رھ eee‏ کروی یں ادوس رےکواالشت بے خلاف قرآن تارا تو کیج ہگ رکے صرف 
میرے قبا یک ای ےا کا رہہ د اکر تھا ا جاک لخت ر کے فا یس ترآ نال وا ابق ام لات ا کرد یں 
اور اگ رکوئی لیت پا کی ری توو ی ری جس بر مھا یکا تفای رما اور جو ض تل او روا کے رات خر می قراء سبعہ تک کی یں کے ۱ 
لاو قت یں کر ر ی یال واوغام و خی ہکا اکا ف ی ہا رباج وآ خ تک ترا ہہ رشن موجوررے_ 7 ْ 

ا و ات رر ا تی ہیں ترا 
ہے کے ی چرعاء ےک کہا ےک اکر ترش مات سے ریادہ یلین یہ سا تک د دا ا سے کاک ےل اتلاف 
بھی رات وس ہیں ج نکی طرف ی مات ریرج ہیں۔ کے (ق کل کی زات می اتتطلاف ش یہی کیا وزیادٹی مس م 


اورک اخترف © برک اور مون ٹکا اشتاف() م ناشلا فان ی نیف وت راو رت وکس وغی ہکا ا توف میس تب ۱ ۲ 


ادر منت بقفظ اور بَقنظ (8) اغراپ کا اخلاف (7)۹ و کا خرف کے مس یش نو نکی دہ اور یف 7۲ 
ٰ دافا ج ‏ وٹ 


3 


ظاہ رک ہر 0( ) ۹ . ۳ ۱ ا رول ٠‏ 


زت کے آخر کک ہریت ارا ۳22۳-۷۸۷۵۳۵۳۷ 7 ا ظاہری ای ہیں جو نام ایل 
زان ھی در ا فو جو مرف الال دک کان اھ جن تلب ودای رنت کی ےکپ ۱ 
او ای ۱ 
OTR )‏ اب سای صیعے رفا 
یت سا اا ظا یت کے لے ایک یبا ہے سپ ہداس کے حا کرنے بعد ۱ 
رگا کی حد اود تمایت مع ہوا ے۔ - ٰ 
ا انی متام جس پک کرحداوخہایت مام وآ چهپ چک عازن اود ای کے اصول وق جک 
ما 00 وھک سکیا جا ےکم ق رآ ن کے تار یکی ا یں ےا ہین ارآ یت کاشمان ت ول اورت کو 
ککرے یا اک رع وہ رو ری ڑب ہیں جن رقرآن کے طا ری کی کے کے کا حصارے۔ ٠‏ 
اک کا لع یہ ےک راض و اہر ہکا جا قر آن کے نا ہر ی می اور ان کے اا کا اا اور ان گ۰ لکیاجاے' ف سکرام 
ال او یت ے اک وصا ف کیا چا ےو لو یات راوث ری اور ز ضائ٤|‏ بی کے لور سے چا یا رو رو سے وہ 
چڑی ہیں جن کے حصو ل کے ہو رق ران کے انی علوم اور اس کے اصرارومتار کالب انیان م اکشاف: ولام . ) 
ام تی ولس نے ا یلق ہکم الیل می کیا کہ میت کے الغا ہر“ سے مرا دقن کے الفااہیں اور نے مر ا 
الفا ای تاویل ہے۔ مع سے مر یھ ہے کی وج سے تر آئنغ کے۱ ائ رفور ورک سے وا لقن کے مین ع و 
اورتا وک شاف اوتا سے ودد ورول کی ہوتا۔ ۱ 7 
© عن عبان غترو قز قر زسزل ال صلی اشا لوحتم ین نھب نما ارا از 
رة عَادلةو تاگان يوی ذلك فْ+رَفَصلٌ۔ررراہابرائرداع ج ۲ ۱ ۱ 
رت کب الت نیا رو و راو ہ کے مرکا رومام کا ری ی انرود وخ هھ 
رش عارل داور | کے ملا وہ جو ہاتھ سے ودار ے۔“( (ااداؤ ااج ` 


تک : مطل بے ہہ ین ک ےط مجن ہیںە یا کم دی نکی یران یں بر ”ات گم "ہیں ہیں جو قوط او زخیر 

نت مور ہیں :اس سے کاب ان کی طرف اشارہے جوا صلی رن 7ات یات ھی ہیں سے ہا ہیا ں عرف یں کوک کیاکیاے اور 

وو سرے وم چا کے لے یل یو کیاکی کے مات یی "سات قالمہ“ ہد رث جن اور ستاو تات 

کے سما کے امت ںا 

ٰ۱ "فر یضۂ عادلد“ اک وچ ای ی ا 

قیاس جاع رجگ یح لک رن اک طرع واجب بچ جس طر ح تاب الہ وشت رسول اطہ 8 تن ےکک ین " 

ایا ریف ج رلاب وشت کے و وا من 7 
rier‏ وک = 0ک نتان بیج نے 

ٰ ا وٹ اما تاک اور اس کے علا جو ہوگاوزائر اود تی تیت سے یہو ۱ : 

ےگا وَعن عۆف بن قال الخْجَمي قال قال رول سے سد مر اھۇز اؤ 

شنال زاۋ اۇد زرا الا رهی عن غخرونن د شیپ عن اون جو فی رۇ 5او يدل اؤفختال۔ . 


٦ا۷أ0‏ 01090 ۰ E‏ ورول . 
اور حشرت کو ف بن مالک | کی ا ا رو میں کم م انکر نے 
والا۔ اوراز کے اس ری کو عو بن شی" سے ردب کیا ہے اکل نے اے اپ سے ادر ا کول نے اپنے داراے رواب گیا 

۱ 2ە2-ءص شت ”مختال” ک0 تب کمرنے واللاکی جیا ”اوھر ا“ (ماریا کے"‎ 0 ٣ 

تر :اہ پیا نگمرنے سے مراد وع ونشیعم یکر TT TOT‏ 

کے یں ان سے دقن یں یی مام ووم ان یلوگ کو و نظ با نکر ناچا ےہ تما اش مک ہے اس اوو اک تا 

۱ اسیک کک وہ وع کٹ کا ال یں ے۔ ۱ 

"س۳ کا lebt aa OE‏ 
املا امو رکو کول اا اکر مم وروت نہ ک توملا سے چوا لی وس شن سب سے لیہو اور وخا رع 


نہ راچو ود ا سے مقر رکرےگا ناک ود لوو ںکود ؤر کیک ٹکرتارے؛ پا ما و ر“ سے راد ای آوود اممو سکوحاکم وقت نے ۱ 


رعا الا کے لمج مقر کیا ہو یامامور سے عراددد سا دی ہے جو ماب ال مو کی رایت اور اع اع کے لئے امو رک یامیاہو: 
کے عام اور ا وطراء الد جو گوگوں کے سرائے و یا کیا کے میں اور لوق را کی اصلاح ودای یش گے رت ہیں زا ای 
یرٹ سے اے لوکول رز ولو توو ے جوطلب چاہ اور وول کی قاط روع ان کاک نے جا مالک دہ ووی جیثیت سے ای 
" تیم من کے بل ہوتے یں اور ف پروی ال ہوقے وک ودک اصا ر کیل دوعتا یا نامرف ای روآرموںن 
3 سے سے ارول یی اک کے تع اود ایل بال کے علادد جو وعا با نکر ےکا و ی۴ مطلہے ہوک انوہ اراہ 2 ورا E‏ حصو ام 
اتکی تار رر ہے جوز اب شرا وت ابا کٹ ہے۔ - 
) 9 وغ ان وتر فُن رضزل اللہ صلی الله غلبو حم من لی پیر عم كالغ على : مآ رمز 

ار عل جيهب افر ئغلماَنَ الژشدفِیٰ غر وقد خان (بداہ اوداڈیا 

”اور قرت الوچ ری راو ہی کیہ مکار وو 4 پچ نے ار شاو ترایا۔؟ ایاج تک بخ کم کے فی اجرگ ۰ ضر ) 

واج نے لاوقا فک یا اد می نے اپ ج کیک سے ارے می شورد جس کے و تہ کہ 

ا کی چھلاکی اس می نیس ےت اس ےکی کی“ (اارراؤد  )‏ 
رجح :ل اتک یل کو ی کسی ال کے پائل مہ پٹ یا سے سا کو ای کے موا ل کاچ جوا بآ نیس دیپ کر لی انی 
رو ری وچ سے تایا مہ ارہ انل چا ی نے یہ نہ جات مو ےکہ بی مسل فاا ہسے۔ ای یف لک راقو ا کاگنلدااس چا لآ دی یر 
شس ہہس الم وکاڈ نے سے خلا مل کر ٹا وگ لکرنے بر ہو ران شرف یہ چک ا نے اپےاجاد یک 
ای 
۱ صعرت وس ےر a‏ 
کار سے شل ہے موم ےکیہ ا کک جلا کیا مرا یہ کد دسر ےامرم کو اکنا نت ہ دا خی راخداقی وتر ) 
. مرک کی یناپ نا ہے 


a)‏ مُعَاوِيَةقَال 00 ایخ ی اللہ لی ضز الطزطات۔ (رواہ اآوزاؤر) 


8 "ھم٭‪يجیی 00۸۰( نے ییاچ نم موم پگ ات 
2-3-8 


مظاہ رک مدي گے أل 7 ۔ راق 
اور فضرت میاو کے ںکہ م رکار وعم جا نے مخالطہ ر سے ہے فرایاے۔ راڈ 
تریغ :ا ارخا کا مت ال چ تھی ےک ملا ہے ایی مکی کے ای چ ر کل اورپ ومو ےک وج سے ای مخااطہ 
ٹس ڈال دی با جن سے سا کا متص ری علا کور پیا نکر اوران کومڈاط میس ڑل ہو اس لگراک ایا ہچ ےار حرات 
نی نے الب وو برغ علاءکی عات و ت سے نما لی ہوتے ہیں وو نی ںوت اکن میس ڑا لے پالوگوں کے سا نے ال نکی پچ فک۷رانے کے 
لے ون کے انت لے مسا ال جانا :و وس07 رن یس وہ چک را جا نے ہیں او سالط شیج چا ہے زل ۱ 
اس سلسلہ یش جہاں کک ست اھان ےوہ ےک ہگ ری سے جرا نیا سوا لگیا آویے قزام س کوک ال سے ایک من نکی 
زار مان اور کی فک سان فرامءوتاہے :نیہ تہ وفماداورحد ات ونفرتکاسیب ہے٠‏ دوسرے کہا سے موا راہ ٹر 
وک ری فضیات ویقا بای تک ابا ر مود تا ہے او رظا چرس کہ یہ ا ری قر ام ہیںا- ۰. 
لن کر سی مل ہ کہ دورسرنے نے اس سے ایا سوا لیا ور اک کے جواپ الا بای سو لکا و را۲ یں 


سے جیه 
0 


© وغن آپن خریرة قال قال رسْزلْ لى اه عل وَسلَمنَعلَمُوا راس وَالْقْان و عَلَمُو اش ان 
یڑ طن رواد ای ۱ 

اور تر الو رد راوگ ہکس کاردوعام کو 271 اکر لور 
رو کرو ںاو کی کاس لای لن ےک س کیپ ا شف حا سے ا الا گا مق کو ٍ 
@ وَعَنْ ابی الدزدآوقال امغر سول اللوصلى اللةعَلَيو سم فش خض بضر وی شتاب مقا شد و 7 
خلس فيه الْعلمین الناس حى لازز زامن علی شی (رواہ :تر ی) 
او رحضرت لوو را سے ہی سک (ایک دن )م سزیاردوعام کا کے ررد ےک ہآپ پچ نے انی نظآسا نکی طرف اشا ادر 
رای وت ےک گآ ویول شل سے چاتار کا یپال سک کہ ودلم کے ر یہی چ قرت رکش گے * ز0 ۱ 

نر :یا سے مرادوق ہے اوراشماردے اوقا تک طرف نآب ےکا نکی طرف نظ اش یکویاآب ا ری لر 
۱ تھے۔ چنانہ ا رگادالبیت سے وک نازل مول اور روسے دک ا بآپ ڈڈلا اک اع لی ے او رآپ یف اس ونیا سے رخصت ۱ 
و تی ہوئنے وا لے ہیں اس لے آپ جا نے ف رای اہو ت گیا ےکس دنا ےو و جا کگی۔ 

ما زعنا اپ هُرَیْرَة روَایَة شك أن بطرت اقا اكماد دلبل بيز ْم قا جز ادا اَعْلممِنْ غَالم 
دة روا الترذئ زَفی جامعه قال ان يبن ةنماك انس ويله عن عَبدالرراق وَفالِاِسْحُ! ن مُؤمٰی 
) و سمهت ابن غَیَيْنَة عي اند قار هو لْمْتَر لاد و امع عدار ران ن عب الله (رداہ ار ک) 

اور حضرت الو ہر سی ے روا ۵9ئئئٰٰ پ۹ ۹+ ۹و 7 
) لن دنہ کے ام سے زیادہراعال کی کو یں بای کے۔(ت فیا ) اور چا تم یس اہن ب کی سے قول کہ دنہ کے وام ٣‏ 
مالک این ا ہیس اور عد الرزاک ےیک یکا ے اور تک اہن موکیاکا ان کہ یش نے این یی کے کت ہوئے سنا چک یہ | 
) ادعام رازا ہد ہے( یو حضرت ارول ےخانران ے ےن گنام برالدرو یں براشے۔ سار 

ر :رواپ قول“ کا مطلب ی س ےک فرت الو رین ےتوہ حریث انحضرت پل ہے ورتا ی روای تکی ہے لیکن 
سیت سے ٹکرک رت ابی 0۳006 اا 


ماب مر ۱ ‫ ْ PT‏ ا جلد اقا . 
گاونٹوں کے میک رکو یاز ہے“ ON EOE‏ 1[ وہ شو افروں مرک تولو ٠‏ 
3 دورورازکاسف رگ کے اوعل مکی ا طرر ت کی ناک اغ کر کے اھک د عم تک جل ی جانے کے لئے وغو ںلوتیز کے 
ای کے ور جزکائی کے رات مکی منزل مقصو رم ف ہیں کے 
۱ اپ ے سس وع لس ا ا ھی ف ریھک ری کم نیدیرم ے٤7 ٠‏ 
کے ھا سےکون مرازے؟| 
ضرت سقیان جن کیب جو خضرت بام اک کے ااب اور حشرت ارام شای عو ےب بج خر 
آححضرت نے کار شار سے ما ر حضرت امام مار کاژات ڑم ےا کی رح صرت رارزا وعد یٹ کے شی ا زار 
ور اا سا وا راس وک عدىیث می“ ي جا موی" ذک رکا کےا اکا ے م۱ و حشرت اا TH‏ ) 
ین عفرت ؛بن عینیر کے ایک شاک رد حرت اش ین موی فراتے ہی ںکہ نے رت این کی کو فریاتے ہو ئے اے 
کیہ ”اٹم ٹہ سے حر رت عمرئیتراہد یں کک مگ رائی یاز بن راڈ ہے جو لہ یہ خضرت گمفاروڈ کی ادلارٹش 
ہے ںای لے ریا ہاچ اا چ اور' زار" ا نکی سفت ہے امس بل کم یہ اچ زا شس وریہ کے نیک گنی الق رد عا ہوئے کے 
ماف میاو ڈے پا کے زاد ی تہ نکاضپ ا طون چ ہدا کر کن ہا من شروت ر ۱ 
۱ ارول . 
رمال اام ړک وھ“ ید جو ڑل کیانۓے دداں قول کے اف ےج این ید سے اکن من :. 
سور ا٠‏ کر تے ہیں وس طرحخ حضر ت این می کے او ا تلاف جاور کوج یچک ازارو ول رات نے گید ےب 
ْ ول او ود اتپا ری کے سے ؟ کیا یھو تمس س یں کاے۔ ۱ 
ات ت کی کہ ی چاچ کہ مرکارددتا مم NE Ê‏ کی O‏ شید | 
ما سے زیرد اما ید سی ہیں ہوا کک مہ اور لین کے بر ج ب مل مکی ق رک نی تہ سن سکم طرف عام ۱ 
یس جک یتو ایس کے مت پا ا وگ ماف اود سرے ہو ںای ایم ارف راھد ے جو اچ A‏ ا جم وفراست ) 
۱ کے اپار سے بد ینہ کے عا اول سے کے ہو کے کے ۱ 
اس خد یٹ کے قاری تیج ارشار وی ہت 0 پا کا مقر اس ارشار سے ال ۱ 
SS‏ سای موی دی کہ سم می اپ سے ۲ 
بغرا حت معلوم ہوا ہے۔ والل ام 
١‏ © وغد اح عن ودزی رصل الاخل ملا روش عرز قث لپزو وغل زاكر 
۲ مِالْوسَنَوِمَنْ کے رر ۱ 
اوہ شرت الور فرماتے می ںک ہآنحضرت ا سے کے جو ا 88 رااش ا دس انت کے 
۱ کے دای سورس یہ ایی سک یتاپ جو ای کے دکوتا /ح کرت 
ا 21 :لاء لی جر شا ہت ہے مو مر ارلا چک ڑا لاعت کے اندر ات لم فل کے تیارس سب یس مزا 
ا مرجور ہنا سے وی لوکسا و تی ےرتا پر دکہا جانا ۔ رد ان زان مس رک کے اثر رم ر اہو داب ال 
٥‏ ا رہش چ وی سشرعد سےا سی 
تس چان او تق ت کے مارد 0م کرک ائ گل بی رہہ 


r‏ تیار ) ۵۳ ۱ ۱ لاان 
انی ہلت حقرات نے کی نج یکی سے ہک فلا سوک شل فلوں مید پا ہوا ھا اورفلاں دی ش خلا سیر موجورتھا۔ 
لاء سے دیف کت یک یمومیت مو ل کیا نرد کو کے داو یی دا ہو خو وی مامت مہو چورین 
1 پیک ایو ںاو خرابیو ںو مککرے۔ ‏ 
) © وع ِْرامِیم ن عبڍال حفن ن العو قال قال رول اللو صَلّى الله عله ؤَسَلَم بَخبل هذا عليه زک 
٠ ۱‏ خلف عُدُْلَه يلفن عله تخرف الاين َالِْحْانِالْمبفلِينَ اہ تی وستذكرخييْث 
جاہر قَانّمَاشفاء الي السو ال فن باب التمُم ان شا شَاَاللْهُتْعَالٰی۔زریس ‏ ۱ 
اور حشرت ایرام بن عدا رگن فک نرادگی ہی ںکہ سار دوعاأ حم ٹن نے ار شمادظرایا۔ ما رات رما 7رک 
تی ری ٹہ اور می فیک کی مم زاب تیت )کز م لک ری گے اور وی لوگ الک اعم کے رتچ (آیات وا عاومیث میس )ھر سے 
گزرنے وی کی تی کو پاطلو کی زاء پبداز یکا اور جاپی کی تاویلا تکو وو گرب ےہ( اس حدی کو کے ان تاب 
ا ”شل“ م حدیث قب ة بن وای ہے قل کیا اود اٹھوں نے مان بن م راہ سے اور انھو نے ایاھچ کپ ا رر ری سے 
کی ہے) او رحضرت جاب یرایت( شس سرد بی ای اب سمش 
تال“ ٠‏ ٴ 


القضل الكَلِكُ 


0 ن الله صلی لدع وسم من جاء از وهزبقاب لم یی به 
الاسام بیو بن اك سی ےن در جاجد فى الْجَتَقَ(رو:الررل: 
رت ان بعر ف- "۲ Ê E‏ ۶ 9 9 ٹر 
ال رو اود (وہم) اس خرن سے (حا لکرر کہ و اک کے ریہ اسلا کو را کر ےکا 7 ےت 
رر سان ریا اک ر رچ کر 0ک ادروہ ریہ نبوت سے "رواد ) : 
0ر له موسلا تلقال شي مول ہس اناع لعن رجلی ن گاافی: ور اي لِأَحلمُتاگائ غالنا . | 
الى لمكنوة! يخيش يعم اقاس الغیر وال خزيضوم اٹھاز ويو انبل اهما اقل قال شون 
صلی اللّعَلَیهوسَنَمفَسْلْ هذا لالم اذى يصَلّى ٠ذ‏ تکتریة تر ول تع اس ایر على العا الى 
يَسْزۂتيَرَزَيَقزْه اليل صلی على دامر« ندرف 
”اور حضر کن ری" سے بی عریل روایٹہ ےک سرکارددا م با سے پا گی کے دوآومیوں کے پارے می سوال کی 
بن میس سے اک تو اکم ما جو و فراز ھت اچ یی ہک رلوگو ں کو کم سکھزاتاتم.. او روو سر شس وہ تیاور نک وتوروڑے رکھتانھوا اور تام 
بات عباو تک یکر شا( چنا چ ہآپ ا سے پچ کیہ ان دونوں می رکون ہے ؟آنحضرت پل نے راید ابس عا مکو جرش نماز 
نا ے اوہ" یم کر ولو لو ت کا جا یپ انکور ڈراو ررات یں کارت ت راا 0 تی اضیات جا لب بی 
کر کے ہار ے میں ے ایی ار لآ ری ر یلت خامل لے “رار 


شرع ا یل کے کو دونوں ا میں تاپ علم لن کے پار ے: رج کے ھا الہ 022 
مل کرت ابم تمشسش لف سمسش اتقال ہوا ے۔ 4 


٣‏ مارکا بے ۱ ۱ rf‏ ۱ ۱ ۱ ْ ۱ بلر اڏل 


مقر صرف عبات خجداوندگ بنالیاتھاچنانچہ وہ ون رات پم وقت عبادت شل مصروف ر )کرجا مھا رکان خداکی الام تیعمج 
سے خرف نی ں تی مکردوسرا الم ف عبات بھی کی رح اوک رتا تھا اور اپنے اوقا ت کا تی جعت لوو کی اصاخ لیم می سبھی 
مر کرم تھا لیزادووں می ال ی ٹف سکوقرارد کیا سے جوخوو یلم سد کرت تھا درد سو کو ھی عم لا کم یں 
راہ یرایت پلک اہ 

آ2 رز علو ربی لعا قز ئن ردول لو لی حر ٹر ئن نیڈ تار خیخ اه . 

فع وان اسْعْقُيی عه آغلی لَفْسَه۔ارواورتیں) ٣‏ و 

اور خضرت گل یکم ایل و چیہ زاوی چ سکہ سرکارددھالم ول نے ار شادفبایا۔ بت رس دہ ہے جو وکا نان کرای کے پا ی 

کوئی اجتلا یتو اس نے ٹن نایا او رار ای سے بے پدوائی بر تو اس کے کیا سکو بے وا رگھات "رذ 
.× جن :اس حور ت کا مطل ہے س ےک ایک عا کی شان ون چاس کہ دہ ات ےآ ولولو کا متا کر کے اتی ضیشی کرد گے ٠‏ 

ا ی متام دک ت ر ا اجک ال اتان ےید نیاوی خر ماک لرۓ۔ 

e‏ نا کامطلب کی یش س کہ اپنے پک خوام سے کل بے تل یک رلیاجائے اور دپن م سے کان خد کو خروم رکا 
EEE‏ ار خوام دی ضروریات کے سلسلے یس مرف اک کے حا و ںاور کے علاو 0/0 
وو کا رچ ا کی طرف :تو اس چا کہ وو لوگوں کے در مان جائے اور نکیا وی اس لا ضرو ریا کول اا 

پا | اکر عوام خوو ا اس لاپ دای بر سک نہ ای اس سے قائزہ ھاس ےکی خوش ہو 7 ہو ںآو ھا جک وہ 
گان سے بے پول بے او ان سے ترک تھا قکرکے اپ اوقا تکوعبارت تاوت زی میس مشغول ر کے یا رخدمت مم وک 
7 خاط ری کتاہوں کے مطالنۂ او رتصغیف تالیف م میک وک انز ریچ سے ملک دنا پیلائے_ 

لگ وغ ع کرم نان اس قان حَذب الاس كل َة رو فآ تفع ارت تزاج و 

تمل اقا هراوا الك نی قوم وه فی یج بن دنهم فق غلنهم ققح لبهم خده 

لقن لکن الت فَانَا ار َفْحَدِثهَم وهم يشتھۈنەۇانھ لسغ من الدعاوفاجتيجة فان غهدت زشزل 

الللوصّلی اللَةعَلَيهِوَسَلَمَوأصحاه ليفْعَلَؤْنَذَيْكٌ-(» خارف ۱ 

”او رحطرت عر سے رایت ےک این ہا E TE E.‏ 
قبول کرو( مغد مس اک پاروت وک تک رکال ند جا دق غت میں )دربا را ریس تکر وک ررقت سک نبادوعظ و 

ھی ک رمو او تم لوگو ںکو ا ترآ ن سے کی کرو( ن ہق یش تین یارے رمو 
وکت با نکر کے لوگو ںکوطول ‏ کرو اور 21 لک م آم کے پا اکا ور ودای اتوں مل خو ل ہوں 

اور اتک اتو ںو کر کے ان کے سم نے غا و حت شرو کرو اورا ی طرح انم ا نک کی ر فاط رکرو ا لے موق رت یں جائۓ ` 

کت امو رمو الہ دہاکرتم سے و ترو تیج کی فر شک ری یتوجب تک ای کے غا مندہو نم ان کے مات عر یک یا کرد 

وم اتی ارت سے مرف نف رار دادر اک سے چو اہم لے معل مکی ےک ہآنحضرت چا سیت 1 

کے ےی وما ہار ت تمل نی کر ے تھے ' ۱ جار | 
نر : یاک پل صفات می زر یکا ہے اک حدیث ش کی دک چ زور ذیاجادا LE‏ 
اح لک رایت تروک ہے اور ام یت لوت د کب ڈیو پر E‏ را کیک سیا پاکالرادارویرارے۔ 


۲ 


TORTIE‏ کر کرت رت جا کر 
وعطو شحے شرو کروی چان چا الن بات چچیت ویاو امور ے تلق ہو ری اتوں م لہا ا 
مشول یی ںو ظاہ رک درج اول ا نکیا بات کو مک را اور انس قل اراز ہوناخوادو ہم یل خماظ رکون ہو متاس 
اک ات یت کا موضوم فال ابی ہو تو ایک رن ماس ب یں س کیرک جب ایک )زگیٹ سی رور یشک مس مشفول ہو 
. اور وإ کر و نا و تحت شرو کر وی جات تونشک میں کل جن ےک وجہ سے ہو سکم کہ وہ بتق ا بش با ےاوارونہ 
۱ کرے اوردہامے مو قرآن وسدی شک بس ایند کے نم کی وچہ سے ن صرف کہ دادزاو شال بتلا وکاک ای 
٣‏ کے لے رد نک کٹا و ابی تک شس تان ہوگا۔ : 
ا ں اکر ملح تک تقاضانی راقو اس E‏ 
رارک اگیانہ ہو اورود ا ل کلام فشک سے رک بھی ای نک نظ صلحت ضرورت وقت کی حا سے ۱ 
و جمان تک این بای کے تول ی تاق ہے ای کے نے میں باجا ےک اکاک کر کر موتا پر کے انار سے تھا 
نے اس وتک بات ہے ج بک آلو ٹورک شع وناک باوں یئ مشخول کے تھے۔ "۳ 
”رعاش ارت ۱ ملب ہے ہس ےک ریا تر کے اعتیار ےوش ہوا ے چوا مرو وی مت 
ہیں سے لی ہو۔ ای لح واک عبار تکو شمر وا عری کا نف دنہ الفاط م قافیہ او ر مرف نی ںکرنا سے ۔ اہی سے 
آکضرت کی ند ماوں صخرل بی سکیا ہکا جو یی ایت میں اون شقا ند گیا ہے دس سک تچ تو 
آحشرت ا سے بے کف اور ان خودصادہو ٹینیس الن می لآآپ شا کے کف او لوش کو ری یس ہوا ما | 
© زع فان لقع قان قل شون اللہ صلی لولم ئن لب ليلم ادرک کان لفان من 
الاجر فان 2 يدر گە گان لکش لم نالجر - ردام الژاءگٔ) 
ا حطرت واا ب ا سے ردای د ےکر سرکارددعال/ Ê‏ نے ری جرش علمکاطاب ہوا علمما می بھی کیا ترک 
درخ قواب کا اور گر اے عم عالت ہو اک لک ایک عق تاب نے کا ”ارگ ا 
شر :دوراب ١ی‏ رح میں گ ےک ہ ایک ازا بتوطلب گم زور ا کی شت وح کہ وگاجو امن نے حضو ل لم سے سے میں 
اٹھائی ہیں اور دو را ر اوا ب م کے اص ہو ن کا او یرد وسر کو کک عل کاہ وکا یادوس را لوا ب لاہ وگاجچ اس ےکم کیا 
ہے۔اں اش ا E‏ رم ل ل مواصرف ا یک توب ا ن مدت شی یک ےکا 
ا مال ا بات قو سک فی ططاب کم جس گے ہنا اناگ عم حاضس لاہ وکیا تو رگیا لو رک سے ود ولواب یل گے 
او ار مم ینہ ہوا تو ی کیام ےک طل بط ش م رجا کی سارت ے ے 
گرچ د لوال پر وست مد ہو غا یرل ست در للب موك ٠.‏ 
2 عن پیر ةقان قان ر ۇل اله صلی اله علو وَسَلم ا َمِمَاَحَق اومن من عَمَي وتات بغد مت 
لما عَلَمَه نره و ولا صَالٰخا وه اَزْمصْحَفً وَرَنه از مَجدا با وتيا لاہن ن اسيل بَنَاه آؤنھُڑا اجزاۃ 
أده اخرَجَهَامِن الہ فی صا امون ټغ ؤت (ر ابس ابد واک لش بایان 
اور تشر ارہ ووئی موس کہ سار ووا و نے رای مو کو ااس کے ل پان کیو کار کے ہہ رواب مہا سے 
اس می ای کت وحم سے کک کو ہیں نے سیکا اور روا ت دوسرہے نیک ادلاو سے کو اہ بعد چو ڑا ٹیس ہے ترآ ہچ جو ٠‏ 


۱ طابر ر 7 fa‏ : ۱ پل اقل 
ْ رو ای یضرا اف سس ےج کا ےناہد خر 
کو انل نے جار کیا چاو ر ساتوی وہ ترات ے جم کو ی سے اق در اور زندگی می ؛پے مال سے ما ران ام چردں 
اواب اس کے م ہے کے بحر ا لوچا ےد اجا 1 ْ 
تر ون ےک می شائ یداش یں :اس طرح سد ےمم ارہد رےاور ای ور وہ 
: ج و ا مک ہیں نی ان سب کا اواب ایام نے کے بعد برا انار ءناے۔ ۱ " 
® وَعن ابن لهات شہفث رشن الله صلی الله لولم يل االله رجز آؤخی فی انم 
ملك عش لکا ف علب الم سهب لَه طرنق ی نة ومن سَلَبِت گر مته آنه عليه الْجََةََفسْ لفن عِلم 
خيرم قضل فی عبَادَوۇ ماك الین الور غ- رده حا نی شب لزان E‏ 
حضرت ما فا ہی ںکیہ میس نے رار ووم 8ا وراس ہوئے نا کہ الل تخا نے میرک طرف ی وک زک یی پک چو" 
للب کے سے راستہ اتی رک س ےآو شل اال پر جقت کے را کو امان یکر وو کاو رفس کی شی نے ووٹوں کین ین ی ہوں 
21 یلرل ا تامام ویاو آوا تس ونی اوی نے گرو اور ] لیم مرو شک رک یناہ پیش ا کابدلہاسے چت وو کا اور ادر 
4 او مماوت ںیون ے ترچ اور پناک گر کچ« ”زی 
ف‌ ا شاو کا متیر ہے ےکی جو 2 و کے حصول سے ےک ار ےم وال اکال ای NEN‏ 
a‏ شی امیس حرفت و عقیق تک رولت دازا پا ےگااذرعہادت وتر کان عنایت قرا جا کالہ وہای کے 
ہہب ججقت میس رر ہو کے ؛ ای کے ی و یکم لے بے شش آرت مس جقت کے دروا سے کارا اور ئی یس چوک الم 
VEE LL‏ 
کسی ای رف شا چک ای راچ دق آرت جک کاچ کے دروازوں کاو جک 
کی ام راہیں نو ںی رم کے جقت میس رل مون تکل سی ھکر کر یی کم ظول نیت او لیت کے ہبہ سے حا لکا 
کیاد او را کي اون ور III‏ لرن شی زس کاو امراق و الہ 2 
پار لپ برا بے۔. چد 


ا 

ا دی مایا ےکی" ادرف رگ چ الب يپک ام کرات ار سے کا 
چا سے کیہ عحبادات ہیل ریا اورع رم اغلا گی سدآنہ ہوں 
) ٠ل‏ خر انی عبس فان اوش الم ساط عق اَل خیڑ نإخیا يَأئُا-(رداہ الرارئ) 

”اور قرت این بای راوگ یں کہ مرکارددتام ج ےا شاریہ رات ود ادس دا ا دا کرم رکه 
3 کے ر 
نر |ی ام رات راز یت اد رارت خداو نکی م فول رست سے یترک وزی دز یں 6 ایم سس 
رر ور لی کا مشظلہ رکا جائے ایا می حصول مد کے لے اھ نیف تیف اور وک ہیں کا کر نی 
لے 
ٰ © زع طبدلرنو غدبر اور مزل الو لی الا عل ولم رامین فن مجم فاختال 
بی ال دن اجر لا .عون لوتر سو سو سرت 


ظا سر ٠‏ ہت Cp‏ 0ے ٰ یراول 


مَزْلأايِفَتملزن الهفدار اِْلمَوَيعلَمُوحْالْحَامِلََهُمَاَفضَلْو لبذت ملام حلش فيه ا 
”اور رت مدال بنا گر یات ہی کہ زا ری ) کا ددعام ا زر وو اسو پر ہوا جو مد تبوکی یں نع کین 
آپ پل نے راہ دونوں پھلائی پ ہیں لیکن انیس سے ایک (گی شیو و کے سے بش رہے۔ ایک جماعت کپارت شس مصروف 
نراس وماگررتی ہے اور اک سے ای غیت کہا رک کے( حصول مق کے ےھر کی طرف می سے اور صول مقر 
خاش بای پر موی ے بنا اکر غدا چا ے تو و e‏ با سو 
باہو ریلم ھاری ہے انچ یہ لک بہت ہیں اور میا ریا ہوں۔ پرا خضت ظ5 قو ری انش میٹ گے“ . 
دار ) 
س :ایک مرت ہآنحضرت ا i AL‏ 
توزکر ووی اھ شتو ل کی اور ر وسر ججماعت نراک پعلم میں مشتول یپ پٹ نے ان دوفوں شش سے اس جراعم تکو کشم قرارد مات 
زام مس مشفو ل“ اگ اد رنہ مر فہے ےہ زان کی سے ا نک فیا ت کات ہا ر راک خر کیا ی جماعت می بی دک رما کک 
ری رت و شرف رولت بی ) 
م اور الو نکی اکن سے زیادہ او رکیافخیلت ہوک ہک سردار انیاء RÊ‏ اق ااا م یی 
ایا فائی سے اور اس ےآ پکو ان ی شل سے شا رکا ے 


ایت را از کل ر تست . کے طفن ماں ا ہت امو 


© َعن اہی الدُرْۃو قانَ سيل ومول الله صَلى اله عليه ملم َيل اسول اللہ ماحد اللو اَن دا بل 
لجل کا قافا رول الله صلی الله لیو وسَلم من حفط على ایی رون حبرا فی هر هبعت الله 
فِا وہب لد يؤمَالقيامَةسًافغًاۇسهندا- 

”اور ضرت الورروا رادگی ‏ ںکمہ مکار ووعام Ê‏ سے درا تک اھا قرا رکا کہ جب انان و حا لکرےتوقتر 

Tolley le)‏ رتا ا یوار رو خلوام یس ہو ]کرت پک اا نخس ری اق تکوفائدیانھانے کے لے ارو 
انیس مرش یا کر نے تو الل تیال ا یکو قات یس فج اٹاک گا اور امت کے ون دا ت الا اور ا کی 
۱ ا طاعتپ گرا شو ں کی“ 

72 شر عماء کے سکہ و ے2 وات ا ب جانا ارج ددیارنہ ہوں چاچ ا بط یں نر 
مھ وا تک رک لوگوں ہک بای ںاور رح ودقامت مآ آحضرت e ê‏ وای کے 


@ ون انس تی مالك فان سز اللِٰصلَی للهعَليو لم مل رن من اجوہ ود قلٰرااللَهُورَسْل 
اعْلعفَال الله آجُوذ جا مانا ا جود بي ا٥َمَوَاَكَدممْمِنْبَعْیی‏ جل غلم دا رای وم الْقََاهة ايرا 
َخْدَهُاَوِفَلَأكََوَاجنۂ۔ ۱ 

٠‏ ”اور ححضرت ]| ا بن مالک راوگ :2 کس رکا روا رٌ ین ے اہ ر کر تے ہد پفرایاکیا ام اس ہو حخاوت کے موا 
می سب ے بڑ ایکون ہے ؟ ھاب نے عر سکیا اللہ اود ال ککار حول ہی مپشرجانے ہیں ۔آپ پا نے فرا فا تکرنے شل الد 
ال س سے بای ہے اور 17 دم سب سے بای اہول پل وی میں مجر ہے لجر سب وس نس پو نا نے مل سیا 


مظا ہر - a‏ م E‏ لہ ال 
۱ اور اے لایو ہآ قیامت کے ون نا ایب امیر ماف مایا لم ای کگردءکی رآ ےگ۔ : ۱ ) 


رو :آنخرروایت یل راو کوک ہ وکیا ےک رار دوعا م 8 نے را وده رمیا اند دامر لٹ مایا“ اشن ایانس جس ےکم یں 
اور ا یکول وو کے در